Skip to main content

Full text of "Nov 23"

See other formats


۰ a e ng rrr erp err erer EEE ENIYE 


حدر 0 رف تن 


مادا كيت حامعه ال تلم مه وریٹاؤت 


علا خنطہاء اورطلبا کے لے + على نیہ رتل 


۷ يناد روج د يدائداز يل جد ید اضافہ کے سا تش لكياجاء پا ے- ۱ 
: جوم و قح كل کےمنا سب سال برك تقار یر کے ےکا ےکوا م وخ ں کے لے 
۱ یا ل‌مفیر سل کےآخ میں خطبات بمو وكيد إن 
ا رخطب كار کی شا لكردياكيا>- 


ورن ل پاٹ زرل تنل 


کٹ با ںان 


اش سس 
الام کےالن نا مورا يمول اور طیبول کے نام جن 
سارك ایز لول اورا قرا هلوت 
ادنگ ام ركشن اسلامك بیاری مول - 


دونش رتو یں 


۱ © سر ىكتب فان بنورى ٹاک ن کرای 
۱ ماب صلی سل ملح الرازىء بنورى ناو نكرايق 
5 000 #ارارالاشاعتءاردوياز ارک رای 
عدف : ونر اونب رن ال کس کی 
2 ل مر کب ناناشن اتل لاک ۲ رز 
احرار : كياروسو انیا ء بک ,سل 


ضع : شم 8 نحصو م کت فان وان 


1 0 8 5 فا ع کب ذادهرانشاه 
ن‌اشاعت: جولاٰ۰۱۱ سلطا لق رج ۱۳۳۲ ۱ 
53 1 ۶ ل دجب 2 چا کتبہرشید یسر رو ذ كوك 


انام : اليا سل »مز الوس © للب انور ره ولينرى 


سر : مک 0 یتین © متا زک خانہ يشادر 


(ون:0333-7993963) 9 سلا كتب اده يوك باز زا تور 


مقرم 8 
دقر كم یی خطا تکاقام 000 هم 
ات کا رف r‏ 
انیب ل اوصاف rr‏ 


9 ۷۹ ب کے ملق ۳۵ 


(ا۔ اسلا ی تج ری تارج ۵ 


اسلا ی٣ا‏ ری كافا ده ۳۰ 
پت 2 ھ۶ 

میداد تک نیلت 
۳ ای کات ۳۲ 
ریک کم پم اش بڑھیں 6 


مم اش سل خن چندحکایات ٦‏ 


ارگ ایب دن 27> ۵۰ 


رید اورا سک یں مه 
شر کک ابتراءكب بول ؟ 12 


سمل شرك ابتزاء ۷ 
رک بع جز ےرب لوک - ۷۳ 
خناء مر ین ول 


وولوک شر کیو ںٹھہرے؟ 


9 یارب شر ک ای 


مضا ان عوبر 
>ورولصارگی 1 
سارو يرست 5 
آ اب وابتاب برست ۵ 
جنات ولاگر برست ۵ 
ال رست ۷۹ 
شرن کے يندت 3 
٦ 3178‏ 


ارڈ ل جنرعتاتر  ٦۹‏ 


٣ے‏ 
دورجد یڑ کے رن اپنے اشعارك رو ل <r‏ 


ے۔عباد تصرف ال کات ے ۸ے 


ر تنو عل راللام ۸۰ 


| دالا نیا ,خضرت ایرام علیاللام ۸۱ 


ححضرت يتقو ب ملالسلا م ۸۲ 
ضرت ميب عل اللا م A‏ 


ای شا ,ار كاف 
مصنوك من ظره 1 
۹ مل حا ضرا ظر ۳ 
ہرگ حاضردناظرصرف الف ذات > 2 ۳ 
5 2 ضرو رن ۱۵ 
كووطورك مخ ری ہاب می لآپ نہ ے ۵ 


۷ م فی 
ین می لآ پ مو جور ے ۱ 


تنام انها ءیش كروت 
ات Ar‏ 
۸ا مالف ب صرف اٹک ذات ہے A4‏ 
( )م اول یب زال ۸۸ 
می بك لن وکت ریف ۸۹ 
رفي بك اصطلا یت ریف ۸۹ 
علا مر اصفهاى مرف ۹۲ 
الا سلا ا ریش لیب ر qr‏ 
(r)‏ ا دو یب عطائی ۹۵ 
اباسح د یکا فر مان ۹1 
لانتو ب علي السلام فصل مات ہیں ے۹ 
غيب اعادی کی روق را ۹۸ 
سات داثعات ۰۰ 
الى ب لکاایک متا لطر ۵ 
طرفي ب نها یرس 5 
فاوی قاضی نان ہنی 
۲ رما فول 


کووطور پرمناجات کے وذ آپد د 2 از 
قرعاندازی لوت تآبد 2 ۱۹ 


2 
اوران سف کے پ٥‏ کاپ نہ ے ےا 


طوفان فو کے وق تآ ياد ے ۳ 
ارت اتو لگ ہلا کک کے وق تآپ د تے ۱۱۸ 
ساب ایا رام نی حاض نا ظرنہ ے ۱۸ 
(۱) خضرت ابرا تیم علي السلا مواق 1 
(۲) حضرتلوماعلی السلا مواق ۹ 
( ۳) حضرت يتقو بعلي اللامكاواقر ۱۲۰ 
١ (‏ ) رت موی علي السلا م کا وات Ire‏ 
(۵) حمر مان لالسلا كاواقر ۱۲۱ 
(1) حطر راو رعل اللا مکاواقے 


جوامرا خلا ط كا فى 1۸ 
لاك ل قار یکا قوی 


عقی ر٤‏ عاض رونا را عاد يثك رون ل 
می ورال 

عاضر ونا رک عقي وفقها ءكرا 17 نظرش 
تاضی ا نک فو ی 

عا م ولوا یک فتز ی 

گنوی 

جوامراخلاط كاف ی 

جرا کا وی 

شر ف اک فی 

اروا ںکوحاض باظظر مان كط رس 

این انی 

ال برع تکاپہلا ار لال 

ا#واب 

تادالو لكا دوسا استر لال 


لوا 


انصا فو لكا تی راا ست ر لا ل اورا كا جواب 


١ا‏ لایر لوست عامم 
اک وم 
ماود بو بیت عامہ 


رب کاصضبوم 
تص را 


74 ۱ 


۱۳۳ 


rr 


۳۳ 


rr 


rr 


rr 


۳ 


۱۳ 


۳ 


۳۶ 


۳۰ 


۳۱ 


۳۳ 


٣ ات‎ 

ایت مر" 

اتی لک رصح عام 
ايت 


۱ م دوم بیت نام 


سی 


ار صر ف أي ر بک كارو 
حر تآ و صرف ایک ربكو ركارا 


نرت فوع صرف ايل رب وركارا 
حر تجوڈ ےکی صرف ایک ربو ركارا 
جرت صا" نے سب يرب سے نان 
رت ايراع نے موق پر بویا را 
کک واا یک کے لے دعا 

حضرت ابرا ت موی دعاما كك ے ہیں 

یراع کے وف تصوی رما 

بعش ئ رک کے _ل2تصوی رما 


ی رک سے و خصوی ریا ے۵ 


بع ری کے ل خصو رءا مها 
زین وآ ا كارب صرف الت > ۸ 
ایک ی ربخ لكشا ے ۵۸ 


حت يوست نے ایک ر بک عباد کم ری وها 
رتست "ناگ ےکوی ارا ۱۵۹ 
شرت ہوا کھانے کے ے اپنے بویرا ۱۵۹ 
ر مایا ضر سسا ااب سے ٦٠‏ 
حر توک اورفركو نكا یسپ مكالم ۷۰ 
حر ت ال انی ےی ایک ر بویا نکم ری ۱۱ 
حر تالوب شلات ل ایی ر بویرا ۱۷۱ 
فض کے لے حضرت ایب لير بك هارا Nr‏ 
رت باق نے شال قوم ها بک پکارا و 
حطر ت زک ی نے الاد کے سے صرف ربكو كارا 1 


بڑھاپے میس بط ۱۱۳ 
حن صرف امد بلوپکارا ۱۱۳ 
ای ب اف نے شای در ہار ایک ربکو پچارا IY‏ 


اکا ب ہف نے فار تال ایک رب( ۱۷۵ 
سل علیہ ھم نےصر ف ایک ربكو ارا 


صو راکم نے بی لكام ل ر بکو پک را 11 


ضوراکریم ذا يفم رجز اپنے رب سكي كرو هذ 


۱ حضو ری اي ںیلم نے جا کی نت رن 


کے متا بد مل ربكو ركارا ۹ 
حضو راکم نے رورت لیک رب سے دای ۱۹۶ 
لا ال الا نگ رسول الہ ۹۸ 

۲ تیال کے راو ہو ۓ؟ ۱٦۹‏ 
ال گرا یکا یب قم 00 ١ےا‏ 


الوبييت کی جا یکدی 
ابات 

٢ا‏ تا راس صل وت ۸۳ 
ین سا لت ک نفب کوت 


۵ _اوهصفا یبور تکااعلان ۱۹۰ 


حو رکا ا ہآ پاقال برجي كرنا 


۸۳۵ 


عا ماوات تخل زات 


۹ 
سج رواک Foe‏ 


على خطرات, 


مضا ان 
کمن هخا ترا تکاطبور ۳۰ 


إلى مزا تکاظہور ۳۰۵ 
ورضوں ے ان زا تکاطمور ۳۰۵ 


شتا ءارا ہے خن مزا تكاظبور ۲۰۶ 


ےا تقو را کہ گی ذمانت ۳۱۰ 


۰ م 
تضورالرم کی ذبات کے چندواقعات ‏ ۲۲ 


۸_حضوراگرم ےاغاقیٰ عام 


ھی اک کے اخلاقی صن کے جنرواقات ۳۳۰ 


۹ا حضو راک کات کے لئ رصت ۳۳۵ 


حضو راکرس کا نانول کے لج رمت ہونا rra‏ 
فصو لئ رصع مون ۳۳۹ 
فرشتوں کے لئ رصح ہونا FIR‏ 
جنات کے لح رصت مون ۲۲۸ 
جافورول کے 2 رت هونا ۳۸ 
ایک بر نک واقم rra‏ 
پرندوں کے لئ رضت ہونا ۳۳ 
یر ۳۳ 


۲ حضو رارم سه نول كت ۲٣٣‏ 


rrr یم‎ 


مضان سے2 
بت حكن اسباب ۳۳۵ 
حضوراكام کے ا تسا عبت ۴۳۸ 


دود وا سل تون د سے وا نے عن جو FFA‏ 


کات FFA‏ 
_٢٢ |‏ واقعاسراء rrr‏ 
تع رسو ل قول rrr‏ 
مچ رام سے سودافصت یل rra‏ 
نزو اف در بت اللقدرل ۳۳۸ 
دودو تراب ۳۸ 

وافوسترارح ب چنا تزاضات 
اورا کی کے جواپات r4‏ 
اعتراشاول ۳۹ 
اکتا دوم rrq‏ 
اکر ال‌سوم ۳۵۰ 
۳ اش پالم ۳۵۰ 


مې تی ےس در وای یک 
ک نک ن انیا ء ےکونکو لے 


ror 


مج تی سور 3ای تک 
ا اناا الع ror‏ 


دای ے 

ركو جاو ركس بل فرق TAF‏ 
ے۔سائل زاوج ۵ 
زكوة اوركش ربل فرق AQ‏ 
اموال سال زكوة 
اون لكانصاب 
گا گیٹ لکالصاب ۳۸ 
یر بو ںکانصاب ۸۸ 
سو نے چاندیکانصاب ۸۸ 
ادال زک کی چن شر اند ۳۸۹ 


۸۔مصارف ز1 ؟ ۲۹ 


نكا رگا راورنشیر 


۳-اسلام سل طہار تکامقام ۲٢۱‏ 
یرال ۲۳ 
۳-اسلام می نما زکامقام ٦‏ 
زاریش 
نما روزن ویر ایر یل ۲۹ 
۵ ۔نماز ےراپ rar‏ 
از كل لبال کے1 داب rar‏ 
نماز ضط غ وتضورع ےآ داب ۴۵ 
ماز تعر یل ارکان ےآ راب rL‏ 
۷.-اسلا مک ارگ ولج ۹ 
زاوا ؟اداکر بن ےکی فضیلت ۰ 
زک ادا نگ نے پردحید يل 


آ رارف زكوة rr‏ 
قرا رین ۳۹۳ 
والعاملین علیها ۳۹۳ 
موء لفة القلوب 
وفی الرقاب 
والغامين 
وفى سبيل الله 


وابن السبيل 

۹ کب مالک انیت 

كسب مال رآآن وعد ٹک روش 
رامش 
حابرا 

کارا 

ار 

۰ سکسب تا مکی تا 

مال حرام سے خلق چنراماریث 
جک فر ۱ 

يترا 

7 ےم 

اي تر 

۳۱ رامآ یر نک‌صورش 
مت رشوت اور رآ نکر 
رمت رتوت اوراعادهيث 

كل بيس 

ساكل 


7 
رادار 

روک ری 

مركارى ميال 

الكل ژ فا ران جواخات 

٣‏ ۔ روما تییت سے الا مال ا مت 
یرای 

ان کیرک سورت مس 
تالا ترک رکیصورت مل 
بت الرسول كشك صورت ٹل 
هریم 

۳ ۔فضیل ت رآن 

رن ادک ٤ے‏ 

ق رآ نکر بااختيارمقام چاہتاے 

تم نے سرک ری طور يرق رآ نکوکیامقام دیا 
قانون پاکتان ادر رن 

ت رآ نک ری کا معترلمظام 


مضا ان 
ران مک خرو ی يبلو 
سورت تن 
سورت لك 
کات 
مورت ارہ گرا 
سورت زلزال اور سور تکافرون 
سورت الا 
كات ثرا کاو وى پپلو 
سورت فا ت٥‏ میل شفاء > 
ايهال 
کارا 
ا 
سور ة إقره 
آت الى 
مور كيف 
سورت کین 
مورت دعان 
سورت وا 


مورت حشر 


۳۳۵ 


۳۵ 


سورت لام 

سور تک ثرون 

سورت اخاگل 

معوزٹن 

چن رآ ی آيات کے وا 
۵۔فضائل رمضان 

روژول سیف او متيس 


روزے کے ضال > چنرامادیث 
۲٣٦۔ا‏ عمال رمضمان ۳۹ 


رمضان ل7 ارت 
زكوة 
صرق الفط 


لل القرر 
اعکاف 
بڑےفضال وا قل روزے 


ا کر ل Yr‏ 


عیر نکی ابتداءك ل طررح مول ؟ 


2 


۳2۹ 
۳۵۰ 
۲۵۱ 


ror 


۳۹۳ 


عوم 


عيد ین کےآ داب فضائل وای هوس 

تفیرآیت بوره ے2٣۳‏ 
۸تار ست الد اسم 

آرم علي الملا م ویر بست الم Fa»‏ 


حم رت ايراتي علي السلا م ارت میت اش ۳۱ 
حرود بت التہ rar‏ 


یت ال حط رت ابرا کم عل اللا م سك بع ۳۶۳ 
۹ _ح ضرت ابرا ا انات 


اراتم عل اللا الد نب عع۳ 
بہلااستا نکن رض لكامناظره ٣۸‏ 
مرودست کث ۳-4 
دو مامتان سرکار یآگ ۳۸۰ 
نو حیرواییان مول ايامو ۳۸۰ 
حطر ارا تیمک زار شس ۳۸۱ 
تمہ را اتان شام طرف تبرت FAY‏ 
مدال ني ,عابي السلا مامص رمال ۳۸۳ 
خم تيد او رش خوار ول می بوذا و 

وھ مان ۳۹۳ 
۲ ناما نشت ج راوز کر ۸۵ 


ذاش کےذکاتصہ ۸۵ 
*_فلفسن ۳۹۰ 
ركان نم ےکا فل وی منظر ۳۹۲ 
فلل ال الا انشگررسولالثر ۳۹۳ 
فلق نماز ۳۹1 
فلوم زك ق وس 
فى روزه ۳۹۶ 
۱ فلو ريه ۳۹۸ 
كورنرعاث لكا ققصر 
طواف ل ایک القدوا ےک قصہ 2 
0 زیت ا 
رم تارف ۳۷ 
لب فش وا؟ re‏ 
2 کس فرش ے؟ ے۰٥‏ 
فرش ہو ےک رس ےم 
مولع ۳۰۸ 
2 ۳۸ 
رن كَل واجيات ۳۰۸ 
کےاقسام ۹ 


ماقام 
اراد 
مان 
طواف ودار 
فال 
2 
یر 


ور 
فا رہ 


تضخرتطالو تک خلا فت کل بج 

ترت لیف علي السلا مکی وزارت 

“لم دين قرا نکی رو س 

“لم د ین احاد تک رون س 
۳۔عدارس اسلا میت رت كل روق س 
ضو راکمه ی بعنت کے متا صر 

اسلا مكا لاه دسر 

رذ خن شام عل دار یک قا م 
رذن فارل عل ماد لک قا م 
مر د ار لكا فيا م 


پرس خر یں یراد لک ام 
رن کے بعدانحطاط 
زی کے بحرن 
رار اسلا میک زا لیم 
رن ار رکآ ر 

یدارک اسلا میکاطر یق کار 

داري اسلا ميك طر يم 
وفاق‌الرای‌اکتان 

مت اوريرارل 

۵-علا تن و لوین رک دار وکا ر نے 
خیطا ن ت لک ےر ے؟ 

علاءل ےکا رناے 

اق‌میران کےکار نے 

می مير ان ے 4 کنات 

لا دی بندطا لبان ككل س 
٦۔اسلام‏ یں رت كا تور 

ھ یمور مارت سل بجر 

ضرت شا ابندا فی ری كلع ہیں 
ا پاد ن الاسلام 


باد ىريف 
چا مس ۳۵ 
اد ۳۵ 
مادک دوس رگم ۳۵۹ 
الوا جباد ۴۷ 
ور اول جبادالمال ۴۷ 


چاق دل پر چنرتبات PAL‏ 
*ه_اسلام یی جتبادك امیت ۳۹۳ 
کا كرام جہاد کے می دان ش r۹1‏ 


عبادات يل چہادکی ایت 2 


صلو و نون ۳۹۸ 


نو دوم ماد مان ۷۱ جار یخصوصیات 6۹م 
تور سوم جهاد باس اا یر ۵.۰ 


۸اگ کی جادزشی ان 
,صخرل اکر ےکآ اورا ی کے اٹر ات هام 
آبر برس مطلبعەرزاقادیالٰ ا 
6 ۳م 


rar 


جتبادك ات جنداحا د یٹ 3 
ا۵-کافرول ]كول 2 ہیں ۵۰۳ 
مال برا ۵۰۵ 
ال ٣ٔ‏ ۵۰۵ 
رآ نكري اورقا لکفار ۵۰۹ 
لیر ے۵۰ 
اماد یٹ اورقا ل لفار ۵ 
فضا جپاداعادی فک رواش ۵۰۸۰ 
۴۔ بدو ںکی جرت توأ لك مت ااه 
حر سلبرا نعلي السلا مکی جات alr‏ 
سول الم تسل الیرم کےخطوط 


ر ےر یر 
کت نادان rar‏ 


خرااوررسو لکا رباك rar‏ 
ہرز چہاددرس تی ۱ 6 
چا" المماد يال er‏ 
سا بر یک رک rer‏ 
کاپ ر بین کے غلا ف راص نا نكا خط 


رسول الال مث علي وم سقطو ۵۱۳ || حر ت کرو ہن العا لکی جرت 
صربق اكير ترات منراداءلان 2 ۵۰۸ | | اسلا مل طارق من زیادکی جات ے۵۲ 


يبلا اعلان ۸ | ان وتک رات ۵۳۹ 
رو ااعطان ۵۸ ارون ارش دک جرت 2۳۹ 


يسرااعلان الہ 

حص رک رفا رو کی جرات ar‏ 

بسلا اعلان جرت ۵۳۰ 

دوسرااعلان ‏ ات ا۵۳ 

مسرا اعلا رات ۵۲ ترد سول ای ال ےلم 

تدتما اعلان جات ا۵۳ قرآ نتم arr‏ 
سيف ال خال کا اعلان ج رآ ت ۳ | | کے الثر ۵۳۵ 
يملا خط ۲ | |مهربوی وس 
دوسراخی سم | امي اتی ۵۳ 
تھسراخیا arr‏ رسول الیل کی وی سے رمق +۵۳ 
چات کامظامره ۳ | | رآ ن میرک ےش arz‏ 
ما تکالہ ۵۳۵ کد ری و ے نش ۵۳۸ 
أ تکادیں ۵ | | یور وی ور ےش ۵۳ 
رت معاوي کا ات مادخ ۵۲۷ می رقص ی ک ب ےش ۵ 


7رت این جرا کی جرآت ٦‏ | | دی سالك مہ ےش ۵0 


می‌نطیارت 


مان 

تعدادکی وج سے رش 
ملانو نطو يل 
مسطانؤلك يال ز مین 
مسلمانوں کے پا س كل کے زار 
لی وج سے نی 
ام ری افوا 
کی 
دفا ى لان 

6 عقيو نوت 
تم وت مقا کال ہے 
توت کے چئ رو نے و يرار 
(1)اسوضى 

حضو راک رمس ان علیسل ماخ 
(۴ )یرای 
(۳)جول یجاح 
ار رت تک وک کی 
( 60 سگذاب 
سيل کا بکاخط 
رد سول اکا جوالی خی 


۵ یرت 


1 0120 


0۱ | | رت خاللدیکن وید یما کی طرف 


۳ | بهد ين oar‏ 
۲ | أمرزاغلام ات رتاد إلى دحال دده 
20۳۳ ملام ار تاد ایکون تی ؟ 2۵۵ 
۳ | او ییوںآا؟ ۵1 
۳ھ | ام زاقادیالی كت ے۵۵ 
۵۳۵ بوت ب چنداحادیٹ ۵۵۸ 
۸ لی ۵۰ 
008 والد نكا مقام احاد ی ٹک رون س 2۷۱ 
۹ | ار ںآداب ar‏ 
۵۵۰ والہ ن کے دوستول تن لول or‏ 
۵۰ | کار ۵۵ 
۵۵۱ جا ت گ٢‏ ۵۵ 
۵۵۳ 604 دہش ت كرو ی کیا ؟ ۱ 
۵۴ | اورا سك اسبا کا ں؟۵۹۸ 


۳ | | ےھ ریق میس یہلا یوی اشن" ۸د 
sr‏ ۸_شا ناب ضوان ار ۵9۳) 


۵۹۳ الارن ہوناے‎ dar 


رشان ی رک یوش 
جز انم فد رت را 


از یاد اترا 


جا يان درت مرحم 


Lit‏ ددر ےک مم 
زتره 

53 مقر رت ٦‏ 

یادن ڈت ہے 

ایا ذدرت ۸ 

حاترا 

٢ امت‎ 

حرس لیر شی ال ع نکی شان 
حر ت رفا روق ری ابرع رک ان 
حطر ت خان ن عفان ری اشع دک شان 
حفر ےل ری ان دع رک شان 
9_كقيرة آرت 

عقیر و آ خر تکامظلب 

کقی رہ آخرت ۱ ات 

جاہلیت او میل1 خر تا ا ار 


بیو وکا تور ثرت 

نصا ر یکا نصوراً ثرت 

شیم روا کاتضورآزت 

ال برعت بر علو لو لک نضورا زت 
آنا ناو لکالصورآ ثرت 

برو لكا تصو رآ ثرت 

قاع تکادن احاد یشک رو عل 
كيرا فزت ل خلق جندروايات 
۰۔ ق امت سے ييل بڑے يذ سه وا قخات 
اورثتو لکاییان 

خطبات بمعر وكير ن 

خط کا 


مر 


۱2۰ 


٦۸ 


هر مم 

ا الا یری مار 

٢‏ شبیدوشہاد تک فضيلت 
۳۔ مم ایت ہک بركات 
"اركأب مین جرم سب 
۵ عب قر کےا 
ے۔عحباد تصرف الل کات > 
:۸ عا الخ ب مرف اشک زات > 
ضط حاضردنظر ۱ 

١ا‏ اشر تیا ےک ر لا بت عامہ 
سر ف ایی ربكو قارو 
یا کی ےگمراٗ مو ے؟ 


ا حضو راکر ماگ کے جرا 
ا _تضوراكرم کی ذيانت 
۸ا تضور ارم الاق 


1 
۲ 
۳۵ 
rr 
۵۰ 
Ye 


۸ے 


قرز رت 


۹ا تضوراكرم کا یات كرت ۵ا 


۲ 


ہا تضوراکرعم سےسارانو ںی مت rrr‏ 
۲۱ وافداصراء rrr‏ 
۳ وا ران ۱ For‏ 
حصددم 

۳-اسلام شل طبار تکامقام الام 
3 الام لما زکامقام r‏ 
|۲۵۔ نماز ےآراب 2 
۷ اسلا مک ترا رن کو ۲٩‏ 
۶ ما زکود هم | 
۸ مصار ف کرو ۲ 
8 مسبطا لك امیت ۲۹۸ 
۰ کب ا مکی | 
٣١‏ ۔ترامآ مر نکی صو ري ۳٣۳٢‏ 
٣١|‏ ۔روما بیت ے الا الامت ۳٣٣‏ 
٣٣ل‏ تث رآن.. ۳۲٣‏ 
0 رآ نخفاءدے۔ ۳۳۵ 


۵۔فضال رضان rra‏ | 


۳۷ اعال رمشان 

تپ - اسلا مکی ير يلا ۳۹۲ 
۳۸ _حا رت مت الثم ۳۹۹ 
۹۔مخرت ابرائ ینم براصتانات ۱ك 
۰ فل فع ۳۰ 
0 زع r‏ 
فلم rir‏ 


۳دا ںا سلامیتارح رتنس وم 
رار اسلا ميك ا لیم ۳۳ 
نعل موق علياءد يوبن رکرداروکارناے ۳۳۸ 
0 شمن 


"_الجبا دل الاسلام rar‏ 
7 او وت 
۹۔ جباداو ركم L2‏ 
|۵۰-علام نل جتباوك انميت ۹۳( 
اد کافروں ےکور ے ہیں ۵۰۳ 


ان بڑد کی جرا ت چو لك صت ۵۱ 
۳۔ فی دوا تکیاخودتطاظت کے ۵۳٣‏ 


۵۵_اطا عت والد ن ۵۵۹ 
۵۷- رہش عكرو کیا ے؟ 
اورال کےاسبا بکیاہیں؟ ۵۷۸ 


> کرای میس ہلان وی خن امه 
۸_شان کاب رضدان الم ۵۹۳ 
۹ -عمقی د٤‏ آخرت ۱ ۱۳ 

مت ے پک باس مر ۱ 


واقعات اورقتو لكابيان 
خطبات بح روید نا 1 
خط ءا 2۸ 


030300 ۱ 9 مقرم 
»با 157222۳2۳ 
مترمہ 

الحمدلله الذى هداناالی الاسلام وماكنا لنهتدى لولاان هداناالله ھوالرحمٰن 
علم القرآن خلق الا نسان علمه البيان هوالرب الاكرم الذى علّم بالقلم علّم الانسان 
مالم يعلم»له الحمد كما ينبغى لجلال وجهه وعظيم سلطانه وجليل انعامه الذى علمک 
مالم تكن تعلم و کان فضل الله عليك عظيما. 

وصلّى الله تعالی على خير خلقه الذى أرسله الى كافة الناس بشیرا ونذيرا 
افصح العرب بيد انه من قريش خطيب الانبياء وبيده لواء الحمد يو م القیٰمةء افصح بنى 
عدنان وابلغ بنى قحطان صاحب جوامع الكلم ومنابع الحكم نبى الرحمة ورسول 
الملاحم صلوات الله عليه وعلیٰ اله وصحبه أجمعين . 
اما بعد: فاعوذبالله من الشیطان الرجیم.بسم الله الرحمن الرحیم»قال الله تعالى : 
«وشدذناملکه ونیا الْحَكُمَة وَقَصلَ الخطاب #4 (مرضصم) 

ارات دی تم نے الک علطت تکوءاوردیا کوب اور فص لكرتايا تکا۔ 
وقال عليه السلام" ان من البیان لسحراوان من الشعر لحکمة " 
ور الث يروم غراف بیان دوک رسكت »ورف شرت سح ب بو کے یں - 

كر متا رین ! تال نے انا نکوجانوروں سے پ ول اورافهام ونيم کے زر لك ےم از با 
ہے بد انان مد لی اطع اک اپنی ضروريات ہیں اوا کے لك رت کے انتظاءات ہیں ہے اسۓ 
"ول حك مان کے ےتا متا ےء اگ ایک ذند كمرك ہے اورایک :ترك عرالت ووف کی ے 
157 ایک ترك ان مک کےاندروٹی عالات سے + ی نکیا دسا کک مارگ 
داتعا تک طرف ے۔ 

سیاسیات ول با عبادات ہو ت رن ہو یا معا شیا ت وموا رات وا فاد یات ہوں) انان ان 
تام ميد فول ب سکلام اورگنشگواورقو تكو یک طرف تا ے .کول رض رور یات نا خط وکابمت سے 
برک مک جيل »اورن اشاروں »ای لے اٹہ تیا نے انا نکوقوت بیان اورطاق تگویال عطاك 
ےک سےانسان ا ۓمافی الضمی رکا ان کہا رات نط ريق كرد يا ےء ای قو تگویال عل الله 


ییات سس سس 
تا سس انا نکوزورخطابت ے یاو ازا > توصافی الضمیر كا ها راورئاطب و بیدا رکر نكسب 
سے زر لیر 
ءا شثر کم یل خطا تک مقام 
انان حارو کو د يكت سے پ پت علا ےک لم زا نے میں خطب وخطا بکا روا تھا ءاورال کا 
ا ره متام ہو تھاء جنا نقد كم زمانے ما وبلغام کے خطبو ںکو جب دیما چا تا سے لقن سے 
اک وا ان لوكول کے يال اشعار اورشعروشاعرق کے علادہ نثروخطابت بشت لكلا ما مذ 
ذ خر موجودتها- چا نرق ز ماس منرم نا اورخطبرد بنا با دشا ہکا او رقیلہ کے سردارکا مو رول ہن 
ماج تک شا ۶راک صورت حال یتر اس رح كت 
فقا این وف نیشن بسن زمر 
ہیں رس کاب 
فی عل ايك امی الا مین اورا کے غ کے رمتا » 
سحبان بن وائل لطبا تكاج ما اذ ننس لكانول” تک بو جوسا لک رتک استعا ل شدہ 
لفظ دو یامه زین کل لاج تھا لیک اور یرداک مرک رب وکیا 
واذا اقزنسا نیا مسن له 
ذا بیترملی ّتا تلا 
جب ميل ل صاحب من رس ردارکولاکارکردھ کات ل لوده ماری در وال فلا 
ایک اود شا عمرنے ا ل طر کہا 
اذا فلك شابن اتسی لت 
کن سک رخو سب معلوم ‏ ےک جب يمل امب ما مول تو عمل کی ا نک خطیب ہو ہوں _ 
ایت کے اس لقث کے لاد رآلن م ن بھی نضرت ورج عليه السلام ے نےکر بہت 
سا سے انیا كرام کے خطبا کول اث كيا لاف موضوءات لفق ںآ نکر م میں 
كلف انیا كرام وا سے مو جور ہیں حط ت شیب علیہ السلا کور ب ل ا نکی روط 


على خطيات ۲ مقدم 
رمخ زخطرات کی بر يپ نا ال خطیب الانیا کا لقب ديا با »اک طررح ریت ول د عليه السلام 
کوصا دب فصل الطاب کے لقب سے رآن بيد نے با دکیاے۔ سور ل آی ت۳۰ کے كنت علامہ 
ارعان امت وَاتَيْنَاهُ الحكُمَة وَفَصلَ الحطاب یم میں حضرت داژ وعلير السلا مک رها 
مر فر مات ول - 

کبس براوردانا لك » جربا تكافيصل بک خولی کر ے اور بو لت و خہاجیت فيص دكن 
قرو ی برعا ل من تفال نے ا نکونوت بن نيع قدت فیصلہ اورطرع طررح ی ول 


كالات عطافرمالۓ تے۔ 
اناخطیُْهمْ یم القیمة 

ور الطرعلیہوسلم اور کے کہہے ججہاں دوسرے میداوں میس وت کےکغا رک مق ریا 
وول پرمیران خطاءت يبلك لافار سح متا پر کے نا لد ت. 

جنا سر تکیکتابوں یل ایک تھ ھا كفيك يك وفرتضوراكرم کے يا يا دک اک 
مار ساتھ خطاب اورشعروشا عر یس مقاب ہکیاجاۓ جضور٥لی‏ الثم علیہ لم نے مان لياء چنا 
ابول نے ايخ خطيب عطاردن ماج ب كو جن كياءعطارد سد چربوی س کے سان كات 
ہوکرخقرگر جابح خطا بکیاء ای کے مقابلہ کے لے حضو راکرم نے حضررت غات بن قم دیا کر 
کھڑے بوكر جواب دیددہ چنا ربمت امت نے ف لبم ےہایک مخز خطیرو یا سل مل اسلام 2 
ایکا اكه تھا۔ 

و حید پاری تھا یکم ٹر انراز یں يب یکر کے حضو ر اکر کی الف علیہ وس مک یی بت میا نکی 
او بچھرافصار ہاج بن اور ہماع سم نکی خو بت ری فک »اورم ےکی بات يكرا كش خط ہک تماء پر 
وی کا شاقن میران شآ گیااو رای ےآ کے اشعار نی کے حضو راکم نے ز برقاان شا کے 
مها لے کے لئ خضرت حال كو با یا بحرت صاع نے فو رک طور پرای وزن»اک برا ورای قافیہ برا اده 
اشعا رک ہویم کے شا غ رکو جت لٹا دیا اک ی ہلیم کے وف ےکس کل م کر ےک اکا 

(خطيبكم اخطب من خطيبنا وشاعر کم اشعر من شاعرنا ) 
یک راطيب مار ےخطیب سح بت اوا راشا عرہمار ے شا رت بے کر ہے۔ 
یلو شنک ایب ها بعا م ری بات ے خورتضو ر اکر سبل ای علیہ لم i‏ 


على خطبات rr‏ مقر 
"وتا هم وم القیمة وى لا مد“ 
نی تا مت کے دن میس انیا ءكا خطیب ہہوںگا۔ اد رت کا ھن ڈ امیر ے ہا کے سل موک _ 
اس روایت سے خطباءاورضطیبو نک بذ ى توصل فزا مول ہے۔ 
رال امت یل بہت سار ای خطی بگزر ہی ںکہ ان کے بسو زخطابت سے 
برت اوراضان ارق جا لول ے ہاتھھ دو ٹیشھے پل - 
اس ستل دور میں علماء ولو بند یش ايت خطيب راکو ہی ں کان أن خلا ب ازاف 
ذال کے علاوودوسروں ےکی ككل الا كيا > 
قرت سیدرعطاءالل شاہ خاک ات السلا سین ار ےون واتف 
نيس ؟ خضرت شا ءانو راهان رسک خطاب توكو نو لک ے اسلا مراع رعا مان 
خطابت مم لس تارف یتاج ہیں ؟ حط رت مولا نا سان شا آپادی اوالا مآ زاداورسیرسلیمان 
ترو کی خطا بتكل ب لوشيده ے؟ رات خطابت کے وار ون تیا کک امت ترک گی۔ 
ارسللونے خطابت کے ناکما ے لطاب فن من فون الْقَوْلِ يَحَاطَبُ به الْجَمْهُوَرُ الخ 
خطا ب تكلام کون عل سے ای أن ہے ل سسكام النا سکوخطا بكر کے سکیا جا جا ے۔ 
خطا ب کان اورا دوفو للق لی تك طرف راغ بكرلل ے۔ 
غلا جار شتسه اسای اللا فی ۳اا لکواے ۔خاطبّۂ خسن الْخطاب وَهُوَ 
الْمُوَاجَهَة بالگلام 
نطاب ت ا کا نام ےک ہآ پ بتر ب کلام کے ذر لت سل وگو ںکومتوح کر یب مرلو 
ول سكسا نيلك انا رف توچ کر کے دنیا وآ ثرت کے فاد ےکی با کر يل- 
عا مسد سن در لف نے خط بتك تق ريف تی انداز سے ال ررك الخطابة هُوَ 
قاس مُر کب من مَُدَمَاتٍ مهن شخص ند فيه وَالْعَرْضُ مها الخ 
زی قابل اتا تال اعتاددلئل مرک کا کا نام خطابت سے اور ثطابت ے 
لقصو روا م النا كوا گی روک واغر وی ماع طرف غيب ووج دلا مرا > ہج ل‌طر اتيب 
حرا کر ے ہیں۔ 


مق rr‏ مقرمہ 
ا گے خطیب کےاوصاف 
ارسللو اھا س ےکا کے نعلی بکا یک م ےک دہ اپے بیا نكو مل لک یی کر ےک وام 
الا ںی ہوں _ 
(۱) اتیب کے لۓ ضرو رک ےک دہ بلن رآ وا زکاما کک بھی مو 
(0) تيب کے لے ضروری ےک دو افہا موک مک کی رک +واور اکن وا تول ےڈ رخ ہو۔ 
(۱)۳ ما خطیب وہ سے جوک ےم وکر الى انا زی شان سے خطا بآ ےکاعادک مو- 
ارسطوں نے جآ دا سکلت میں اس سكعلا وو هداب ملا تفر 
(۳) خطیب کے ے ضر ورک س ےک بوقت خطاب ال کے پات ككل ول تدك حت يررك ےک رادرس رج کر 
تر كا رربو مسوقع و پات ہکواٹھانا اور کت د بنا بھی ضروری سے رز یره ناو بھی يبت یری 
بر سب 

(۵) خليب ےضروری ےدوت باری تال ردول الیل ليم کے برق ل یت 
اورعد یٹک سی روایت بر ,کر ض‌ضلیب ‏ ع2 ہیں ”قال الله تعالیٰ اغوذبالله من 
الشیظن ال جیم ال طرر اور ڑھنا یں یراس عقا لکافائل التھاٰٰ ےاورقال 
کامولہائوز پاش ےت بنا ماک کیلمت الدتقا یک طرف موی جو جا أل >- 
(۹) خی بک جا ۓے کج وآ یت اعد یٹ خوب یادہواے يب یکر ےکوی تكد ورت لوراخطاب 
هام ہوجائیگا۔ 
(ے ) خی بکوچا س هک کر دوک انراز دار الفاظ ںا کے با کی کا تھا رک ےک ت 
موا وکا ع كنا اورجلرى جل ری اح بذ کہ گنه انداز یل سنانااصول خطابت کے منائی ہونے کے 
تدس تيل بے فا روخ زخو رک ے۔ 
(۸) خطی ب کو چا كرتل زپان یل وہ طبر د ےر ہاہواس زبا نکی فصا حت وبلا غت اوركاورة كلام 


ےتوب وافف ہو_ 
(۹) خطی بک چا كاوه ج بات ز بان ےکر ے وہ دل كلق ہو اک (ازول نید مرول ری:د) 
كا مصداق ب ن كراش موا 


(۱۰) خی بكو چا سجن كد جيك هد ہا سے اس پر خورگی لکرر | ہو اک( ج ردکھا تق رم نکر ) كا مصداقی 


لیخ تک ل rr‏ ايرصم 


ع_ ہے e aD‏ 1000-1۳۳-1۳۳۲ 1۳50 000 تح 


جن جا - 
(۱۱)خطیب نے کے لے ضرورق س ےکآ دی صرف کل مو وید کے پیش دك بل يعد اك 
موضورع ول شرا مت نکر سے اورا کے بح دقر صو سے اس کے لك آن وعد یٹ اورتا رقا فش 
موا کا تو رکر ےا سط رع راد رکه مج ےک یٹ خیب ب نکیا اب انآ بھی موضورئ 
يربخ مالو کاب موادت آ ان وکا درش رٹ رٹ اکر یا دک نے سے ایک طرف بادکرتاجات کادوسری 
طرف هواک وق بھی ضا موک کلا کی اکن وموک 
(۱۳) خی کوپ سج نكرو هبوت خطب ہا سے لبا لكامبت خيال ر کے ہکم یی موز هلاژ مالشری لبا 
مواو رار ہو اوہ یبآ سه ال سے عام نكا مول عل لوكو کے ہا ں کت بذع جا ےکی سے 
۳ مور کے یکین اورا لكر نے اور ورہن سح كقيرت بذ صن کے ہوا رام ہوتۓے ہیں۔ 

ر کت دنادرگ اس هکم اور چم زاهک یار من تم 
1 رت یں ہیاپ نے کم اے جو 0[ 
کے پاک وال میران حضو رم صلی ل علیہ ویل مکی سنت موجود ہے .کوک رآ رپ بحعہ او رحید ین 
س صو یہ اور لیا ی ز یب تن فرما ست تھے حضو ر اکر م یس خطابت کے نا ری اور بات ی تام اوصاف 
برر رام موججود تك اورسا تن ال کات رارک کر کے تھ جبير اک احادييث ل لاد هک ححقرت 
اوک رصع بی نے ایک دفمرسول/کرم او علیہ وسلم ےر ایا - 

شع رب کے اطراف و انا رو ما کا می سنا ےگ رآپ سےزیادؤم کیش با 

نضرت عا تش شی الخ فر یں 

"كان صُوْتُ ابي صلی الله علیہ زسلملغ حَيُْ للع َوْت غير" 

نی ورس اب علیہ دع مکی وا الى بلك للك دوسر ےکآ داز اکا مق بن كركق 

مگ شري فك ايل حد یٹ مم آیا ےک بوتت را پ کی ا علیہ مکآوازاو ہی ہو جال 
»فص یکیفیت »دبا »كتيل لال »دبا کو اکآ پک نک نکولکاررے ہیں۔ 

ال‌روایت سے معلوم ہوا ےک خط اور خطا ب زد ول ارب تالک کم کہ 


على خطبات ۵ مقر 
اکر ف ل عدم ی رتاک مقر وکا ت وول انل لی كيك ند را 
طرح تھے پارے ادرگلست خوردہ آری کی طررح ول آواز مس خطب دس بام ديا مردہ فریاد 
رر پاے ال ط رب خطا بک نے سے ہے ےکآ رل خطا بك ج رات ای نکر ے۔ 

اس کاب تا 

ند نج زع رص ورا سے جمعہوکید بن ير ما مور ےک یدرک بین ٹا و نکر اوررتما کچ رآ مف 
اد ورب یه بلس رو گرا سر یبآ ار و سال یک خطا کا لض انام دے جک .ال کے 
علادہ رات اورجلسوں يااحياب کے بال می تکاہوں یر کے موا 9 ةب ہیں موت ول 
کاب کی کی دل کیک تت مر وارومو تی کر دوم ر سے و را کال ہو جات تھا۔ 

2 اء سے جب میس ب سیر رس روذ عل خطبرد نے لگا نول شل خیا لآ اکا طويل 
عفر ری ہیں اگ را نک رک اکر کے عیب ےتھک لیا جا نے ذ یک ودر لئے 
بھی مفی ر موک جک ہما کے برجم هزاس کی موضوع لقن لكو تس بو اور اتھھ 
اتر ووس احبا ب لا وكرام اورخطباء نظام کے ےکی مفیر موک ریب یچ برا لای مضو 
تعل ق کان مواوفرا ہم بر اس خيال نے ع زم کل افتا ری :اور ٹس ےم بین جائم سیر کےخطبات 
کیج ریس لا ناشروحگکردیا۔ 

ناخ رتم جع می ات كو بعد کھت تا ط رح ان خطبا کا ایک موم جار 
موكيا اس یس یکدور ےخطیا بھی یس نے شا كرسي جوھ يوا مع سد کے علادہ ہو ہیں يلم 
ارجا رسب میں تنس ہرم وضو کےمنوان کے 2 ایب ری ے پچ رجا رع اور کا نام سے اور 
مقر عا مطور م و كدق ایک ای کن ر »ددرا ت ر سب شل بيسارى با م 
ب اوتا تیش ہوئی ہیں يكن موضورع سل تخلق ہیں نے بعد شل تنام موا اک یرل کیره کے لئے 
ا ضوغ می نگ بال درے۔ 

مس جرج لے خی بل مول اورنہ بحت لفات یکا ط بی ہآ تا ے اور نہ میں لفاش ی کا شوت 
رکتاہوں ۔ الہ تہ میں ہے ھی انراز یس ان تق مروں می ھی ماوع کیا ہے دلول از مانے یں 
رو خطابت بھتاہوں ارک یکول ی کا شوت ہوووہ براہکرم اک موا رکو ايخ الفاظ سا کے 
ل عا كرا نه ان جل » عب لتو ساد یکا عا دک مو كيوكلى 


على خطيات ۲ مقرم 
الفا کے تون شل الھتا نہیں وان 
نوش و مطلب ‏ كبر سے نہ صدف سے 

اس ہو می سکرو لكا سل لط يل موكياء جنا كم ٣ا‏ د ےرم ےتا تک ایک سال 
کرو ں کا وع جب ہا ۓآ یال ای سے ائداه موا كمي كياب دوجلرول ع لآل چا سج ٤ار‏ رکا ب 
صاحب ےکی اد یا كه ور لکنا بک کنات بہت وقت ہکا ای ل تاكلم اكيا يعد ا لكوشالّع 
کیاجاۓ اوردوسرے وتا رو جانے کے بح رشا گرد چنا یں نے نم الہک کے يد ص 
کوشا كي او یکر رفت دوسرا حص تھی شا ع يا اور کناب یف س تم نو ں ی شا موی 
ناس یں دوفتصانا ول ہور ے ایب و نتصان تھا اک کاب کلف تصول کات کلف 
کون کی سےا ری نكو بذ عم لکوفت مور یک دوسرانقتصان بتاک تن حقوں کے الگ 
الگ م اورا نگ ا کک کی او را نک ا کک ئ ریس اورا نك الیک غات اورعرا تک یکنا بک تيب کے 
لے ہت تا نکابا حث تھا اب امد يط تیب جد درکیم ليو كك كتا بآپ کے ہاتھوں میں ے 
جل مس چترموضوعا تک اضا کی موا ے ادراب ا لکاجد تام ی خطبات رکھا كياج ی ا لکانام 
ىقري يل تھا۔ 

ل اترا كرجا ہو لك بجح میس بہت سار یکنردر يال ہیں »اورو هكتزور يال ان تقار ر لگھی 
01 ہو نكا یکن یس احياب علا وكرام اورطلبرعظام سے درم ندانہگمز ار کرو ٹاک ایک سے ی یرہ 
كماد 

مابذرک نارك كل . 

نی جب پورامقصر تم یی ںآ جاو ور ےکویچھوڑ ا بل جا سک بوک کال مواد 
سآ پ کال لول جز گی وک ال ےآ پ اس يروخ یکین اور دوس ے يبلو ےصرف . 
رر ی ""والعفو عند كرام الناس مأمول» 

ها لک گ احا س ےک ہآ ينكل یی دورش موش اتا بل جك ےکا بکوئی وعظ 0 
يع تک کرام کل مركق سے سین ارا مطلب پر لک ا ردک و کے عالات سے ال ہوک 
آدل مت باکر اس اوراص ربا مروف اوري كن ار اور رل نی بکوچھوڑ ٹیش ,لول اکر چ 
خواہشمات کے پردوں لاخ يالل مو سك و لكا بگوی طور ان کے دل رو ےکی زیادہ 


شی ذطبات ۲ میرم 
ےجو کے میں ان ب تفلت کات شل وعناكيا کر ے 5 
انلم الوَنظ قَلَاقَاسِيَا ابا 
رف لسن بقول لواعظ الخحجر 
یی ستل نییعت فا یس 
اوركيا واعظا کے وعظا سے پچ بھی نزم ہو کے ہیں ؟ 
يكن ان تام کاوٹوں کے باوج نکش تار ہنا چا ہے اوراستطاعت سكمطابق بر سلمان 
تن کا جن ابل رک ناو اجب سے بوا مکی ری ہو يان ركني وراب ست ىك ص دابل کنا علا کرام 


رواجب ے۔ سه 


ام ال خر كو اف نہ اے 
لبون 6 خظطاب با ہے 4 
سار راس 7 ۳ رك 
تار 7 گر 2 رے ک 
اٹ تا لی اس ہشن ل بض ےل وکرم ےشرفتولیت نواد اورا لكا و وضرت 
لج اوروكراحهاب کے لے دمیاوآخرت م لكاميا كاذ لی ہناد ے۔آمین يارب العلمين 


وصلی اللّه تعالی على خير خلقه محمد واله وصحبہ۲جمعین 


فظ ل یری نورم سف زل 
استاذ الحد یٹ امعد العلومالاسلا می تور ما5 نک اپ ی بره اکتان 
کم افرام لاہ طا ۹ای لاققاء بروز الؤار 


على خطبات _ ۳ اعطاق ترق تارق 
موضوع _ 
اسلایریتارت 
مرن از 
الیرم اکملث لکم دینکم راتممث علیکم نغمیی وَرَضِيْتُ کم الإسلام دینا6 
( سوروباتدمآیت۳) 


آآج عل راک چکاتمہارے لئ هار ین»اورم پیش نے ابنا اسان را کیا ,اور بن ہکیا س نے 


تجهاد # وا سل اسلا ملود إن - 
قال عليه السلام "ال قَسَدَرَكَيِْهِ ملق الله السات وَالَرْضٍ 
لشن قى عفر هزه 
تضوراکر مکی الث لیم فرما یک ہآ ای يقت پرلو ثآيا مل یقت پر زین اور سانو لكل 
كلق کے ونت تیا رال پارداەکاےءاٌ 


كمسا ن! 

جی اک ہآ پکومعلوم ‏ ےکآ مارم اھ مکی ٹین مارت ہے ما نم کے شرو ہونے سے 
اسلا ئى سا کا آ نابوتا کین محرم ارام اسلا ى سا لکا پا یت ے اور زوا پارہوال او رآ خرى 
ہیدے۔ 

سے سال سك آغاز ب ہرسلمان کے دل ودمارغ شی ب جذ بيدادمونا پا ےک ہم نے سال 
مز شع می كي ا حو يا اورک یاکا یا ء اور نشی سا لآ اد ہ لک اکنا چا »یوگ سال باره ا کا عرص بہت 
ابا قرم سیم اذك تمن د يب احساس پیک یکم سے اس بو ےر کیاکیارادراپنے 
بل کے ے ا كومفيراورن ف بنایا اس سك دبال ان بنايا ؟ سورت ماد ہکی ا ںآ ی تک رش 
22 آپ ہے بات بوبح اسلام اپ اصول ورور اورا سے نیا دی لواعروضواريط اورا يخ جزل كل 
ساكل میں رل سے اسلام اور اسلام نے شل حیات وی مز رکز ار سے سکس بھی شم 
سک فيسل قد مکی طرف تا رن و ا بل دين اسلام مسلمانو کی عيادات ومعاطات 


لی‌خطبات _. ۹ اسلائی برک تار 
2 انا قیات ومعاشيات )الصا د یات وسیاسیات ل معا شرت وثقافت ٹل خارج وداغلہ یا > 

می ب وی سك احوال »رش ری وی زندگی کے بقل ول رل رباك سے بک 
سم اس وکارو لكا کاپان بنایا عكري ان لخو يال ب نک رز رکیز ار پی۔ 

بک وجہ سك اما مغر اذ كالسا لسرا لول پرواجب ےکا نکا اا تام موء اينا کان 
اور ہار ہو پم اورطلبیب مو وض رجام ےکا ایتا برموجودموءحا کمسما ن قو سی مت س غر 3 
قو مکی دستكرث بن جاۓے او رای شنا خت وروايات سیر ارت کر ےکا مع نہ طه»نزاوره 
یت نے بھی اشاره ديا ےک ملا فو کا اون اوی جوا د ییا کال ول ہے اورال کے 
مامتا نے اسلو مس کون برى و ہنی ماد اورروحالى مت سے الا ما لكيا ساب ریا نک انا 
کم داضت اوردوا تک کی سے استتفادوکر تے ہیں لكر 22 
قافا اسلا مکی ات گر ےت ملمانو لك الك ايف ار ہے اس کے ا مقرم 

مین ہیںء وگول کے اس اپنے دن ہیں چوکلہ يدان ای ورد فطرت ہے اس لے ا سک مار 
کیل ںآ مان مس جا ند ے وابست سے جب جا نزظ رآ جا ہے :ل ارہل برل مان ہے ا لكانظامى بندے 
کا مق رک رد ويل ے نسل طررح الک ےد ى ينو ں کان انان نے خود کیا ےک فلا لبي مل دان 
کا ہوک تو فلا انج دن کا ہوا ءاورفلال الما تمل د کا ہوگا اور جب سال کسی خصھی لایر ےآ جائے 
گا فلا ”بيد ججاۓ الال دن کے اس دنک بد جا ئگ ال لور صا بكأخلق در آسمان ے 
جاور نہ چا نت چا ندآسمان ب ير ککرفظ رآ یاد اا نکی تار عم مور برل جا هگ ,نیز 
ال جار کے اپنانے وا ونر شرا اور شرا نظا مکی طرف جو )کر ےک ضرورت میں بل 
وتک ا ناوخا رو بدل لیے بیس خد ای نظام کے بد کا نظا رل ر تا ء ٹس اننا صاب سل جک 
آنا كم ےا نظام خداسے دور ىكاسهب ہے ال کے يكل چا ند سے واب نظام تارب کار 
ہرد تک نات اوک می ل ورك ة دحت ہی لياه ندنظراً تا ے بای ءال طط لوگ خو رکو داش کی 
رف جو پک نے کے پابندہوجات ہیں۔ 

اسم سے پیلہ جا بيت یں لوکوں نے جار کداسی رع اپے اتج می ليا تھا اور يرا رأ 
کر کے ركد یاتھاء چنا يدوه چگ چا ے سا كدباده ماه کے ہجائے تیوه وکا ناد سے اوح ضف 
کے ار جبکورئالا ول کیک رتپ لك سے سے اک ےت رآ ناس لیک( ی)ے 


على خطيات 2 اسلا ف جر تارم 


- ہے جے جے-۔ س -- پ- -- كلت ہہ > 2 


نام سے یا دک ےگم اوت ارد اء اور راعلا نکیا کرو اول سے الل تال کے با ولق سا لکل 
روماو تی اوران شس چا ماو اشم اكرام کے ہیں می زی القحره زکارم اورر جب۔ 

ب الووارع کے موتح ييدان عرذات می سحضور اکر صلی الد علیہ دسلم نے عام اعطا نف كرو ايح 
کرد کا تزا اتی سل عالت پاد تک گیا شی اس سا رن وی دراد بابک راہ 
اسن اپنے وقت پر آنا جو کادان مسب يي اب وقت پر ذ دا سب هل _ و 
نیس تارادا سال ہے ہو صظ رم تا کے ہاں روزاول سے نے شدہتھا۔ 

یو سکوب سک خن ابیت کےایک شا ار کبس 

معدبن عدنا نکی اولادش لول کے يك ہٹا ےکی رم تم ی نے جار کی ے ام وه یل جوطال 


ی ںو راکرد ہے بل - 

ایک اورشا ع تا ے 
تہ در را ٹپ 
بے لدف اه ززز خم 


ان کے لے ”تنو كرا گے يك ہٹانے دالا یک سردار ہے نس تنلا کے يج ده لازال کے لے 
پچ یں دم ردا جب چا ہت ہےینوںکوعطا رد "ا ے اور جب چا تا چ2 داب 
الا یرن کاڈاکرو! 
اسلائی تا اس يل ایک فائدہ ی اكد سال مم دل دن کی وام زیادہ لی 
ساسلا یلو لک توسال ے٤‏ دو دیس دن ال‌سال ےکم ہے جو انکر یز ی ینوک سال ہہوتا ال 
مر اد )ام سے اسلا تا کی ی ارو دن کی تفا یک ار اسلا مرا کیک اور تصوضا 
بأكتان شل اسلا ى تار کے مطاب نی اہی ہمارے سے كواسل فى مب یادہوتے ‏ جرج بت 
ساس ڈول اود گرگ ترتیب کے ساتھ اسلا ى نول کے نام تيبل 1ت بلیان رهز 
نال کے نام ایک بد فرفر سنا جا ہے كلهال کے اتک م نے اتی معاش واب کر ری ےکرک 
وج اورا یفلت اور يأو یکاش س ہکم خی سلموں کے نے سا خوشیاں مناتے ہیں 2 


صلی خطبات __ ٣‏ ا لای ریرج 

مو رس دہ ُدشہ نہ 

يان اين اسلا ى سال لآ شيل پیک كنيل ہو کہ عام اعلام مسرا نول ول 
از اتکی بك ناذا فوال نے فو ہما ر سے سن سا لکوخطر وک یگنن کی ونر لكرديا كاك 
طر كر مک تارق 11 > اسلا سال کا تاز ہوتا ہے اوردوسرکی طرف ريال اورحاثو اوررتشت 
ضودار ہو جات سے جب خوزسسلمالن اي جار ک ندر دكن تو غیبروں سح كيا خاک تو ش کی جاکق ے٠‏ 
آي کے ہکن ں بی سوا لآ اس هک چگ اسلا مہو کی حارج ام وط نیس بھی انی س کا1 حا . 
کم شک بوتا ہے اس کے مطاب کبک ا ادن مكب چلایا جا هك ؟ می لب ہو لیگ ستو دک عرب 
یش لورائظا م اسلا یروق کے مطابق چلنا ےہ وا لكول ہر یی سآ نی ےہ وبال .انس کے اتپا ر ے 
نظا مکو چلایا جانا سج شيل كا انار ب ی كر ست » ياكستان اسلا بار كانظام اسلاى جار کے 
ما چا »تیال سوداكرال تیم ال رآ ن سکس و در سے اور ہتراروں اسا ت و اى تس 
کےصاب سے من و لی بل ر ہے ہیں- 

الاک ار كوس طرش کیا یا ۱ 

خر تکفا رو هبد خلا فت میس ججہا لك مسال اسلا مہ می ألم وہ کا تدا ی كياد ل 
اسلا تاروع گی حایس كا ا تتام کی کی اكياء جو لفق ات اسلا م کا دائرہ وق تر موكيا تال م2 
مسار فو كو امو رضلا نت میں اسلا تا کی اشدضرور تی چنا اس سلسلہ می مرف روا ساب 
کر کیا اورم شور و ا ل حط رات نے مخورہ ولک ہما رکی جار کی ترا <ضوسل ازع 72 
کی پاش اور ولا دت کے دن سے تر ركرنا جا سے سی دا یک تقو اکرم کل وفات 
كادن ا اسلا ى کا پہلادن ضع کر چاج ہے دروں بویت عامم اگل کک 
اوراكا رتكا سف فرمايا کہ دين اسلا مكاي زان لل کول ولا رت ياوفات لور یادگارمنایاچاے با 
ایا »بل اسلا ماک د نكؤتا رت یت دتا ےکس می اسلام کے لے سب سے بذى قر بای 
دک ہو اس را هک رو نارو ةف رايا كراسلا ی تار کی ابت تضوراكرم کے داقو يجرت 
ابا STE‏ ت ایک ایاواقه ےکا مل برا لام اورسلہانوں نے اس دن مقرل كلك 
سب که لثاديا » ملک وشن ودرا روز وی بو ںکوچھوڑاءما ل باراد اورقوم وقبیل سب 
کویچوڑاءاوربصرف اٹ کا نا مرس یزاوم سگم خاک یکوالودارع 


على خطرات rr‏ اسلا یری تار 
کپکرسفراور رد کی زنر رای - ۱ / 
دك ب ایک جار ین یی راو نی با یکی اک لے تسا ھا ہکرام نے اسل رات هویش دكي اور ہے 
دن اسلا تاروع کے 2 ابت دال دن تر اردیاء ی وج ک مارک اسلا جار ری کار کے نام سے 
يإدى جا ی سے جوا یلیم داقع چرس تکریاد ر کے کے لئے ےک لمان وہ موا سے جوا مق دل دن 
كيه تراد سنا ہے۔ 
اس وقت اہ ری تار اھ ے لتق تضورلی از لول وق تب ہر مہ سے ارت 
کرکے م منور وتشر لف نے گے تھے ۔اس وات یکو چودوسوسال لور ے ہو گے ہے یرت ال 
کج اسلا ول سے سے ادرو بارہ تی تیب وارا سط رح یں - 
حرم ارام _صف رلمظفر ربج الا ول- ان بماد الا ول جمادی الام در جب ا رجب ٠‏ 
شعيان الحم _رمضان الہارک _شوال اکر م _ ذ ی القعره_ذى اس - 
ان بول کے سسا تمر صر نو ںکی يبت سارك اسلا ىعبادات اوتا ری روايات وات جل شلا 
رمضاان مشش روزے ہیں جو ای کیم عبادت ے اور گی مسلماوں کے لے باق رہم تک ہین ے اور 
آ خر عید ے مشوال ذواللقعدہاورذ ال ریبادت ہے اور دیس وال یرانک 
يكار اور ید ے ۔ رگ الا ول ںتضور اکر ی لعل یل مکی ولا دت باسعاد تک تار ے ۔ 
اوراى يدك پار وتا رو كووذات ال کارت > 
ای ررح ددرت ول یل بڑدے تال دا تحعات ول نم سک راو راس مسلمائوں سے 
تلق ہے چ مسلمانوں کے بہت سار اسلا ى سا لكألل چان دکی جار سے وابست سج ءال ے عام 
ملمافو وجا سين کاپ شاخ کو برقر ار رکا اوداق روایا تکومٹانے سے بحا یں حضو راکم کے 
تام غزوا تکاادرکپ صلی الثد علیہ وک مکی بوری یرت طی هالعا أل اسلا ی کول سے ے۔ 
ملمالوں کے باس باس زرك اورمقدل اسیو لك رت و گرد رال اسلا ول ے والبست ے 
ال 2 وست اکتا ناچا س کہ ددس رکا ری رپ تکام( اسلا ی ری حارو کے مطای چلاے 
اوركوام النا او چا کرد ہ الى اسلا ی ری بر کر ند کتک گھر پر کر ی 
جار کےا تا رت بس نظ رسك کے کے بعد پ حرا ت الكت وا یکت سنا سمخ 
اہ وسا لکوکتنا سب وقعت اود هله تيز بنادیا ہے هک بوک ماه مبارک ماو مک آغاز اوتا ےی سے 


على خطبات r‏ اسلا ترق حارج 
مسلالون سے سالک ۱ آغازگی چات ےل ماس ای كم سا ىكز شد پنظردوڑا 0 
کا مول برض د اکر ار اکر رس اود بر ےکا مول پرنداص کا جذ ہہ بيداركر کے استغفارکر إل او رآ ین دسا لکو 
لآ ی هکل اورا کون تدا کا عطہ ہچ ےکر ا یکی ق ہک يل اوراسلاھی شتات اور مجاشر تکاا گی 
ور تہارک يل نمكي اك تے نی ںکہ م ٹس سے ایک طبقہ کے لوک تج ريال او راقو ت وکر کے میران 
یش تجا ست ہیں اور مائھی طوفان ب کے ہیں کے ہیں هلا ة ہیں سے مد رگول تراز یکر سے 
ہیں كاليال د ہے ہیں :غر ت کا تہارک ست ہیں عام دہشت يبلا ست ہیں ہیس جماتے جیب رو سے 
ہیں اس آ پکو ييل لاو دوسرا سان ۓآ ہا ے توا لگوگ مار تے ہیں خن بہاتے ہیں روڈ ںکو 
بلا كك تے ہیں مكارو بار کر ے میں ٹ یف میں ہان بو چ کل ذلك ہیں ہگ ےا هکره 
ہیں نول پ ما مک تے ول پا يدا کہ کے میں »با بذ سے جو نكا لت ہیں اورا ی طر ميزب 
دنا کے سا نے مسلمانو ںکوایک دہش کرو وی اورغی رم رب قو مکی صورت میس بی كرست ہیں 
اود تور کل میس لولس اورفو رج سك جواان دس دن کک اپ یگاڑیوں سیت چوس اورتیارر سے ہیں عل 
گی وج قد فاش پر ڑا شر آتاے ‏ خداگھی ناراض اورسلف صا شی نبھی نا را اورد نیا کے سا نے 
تک ينمال الک اور بے ارگ رسب جن ایک نی عبادت کے طور برعي كر کے دين اسلام 
یس بون رکا ر یکا جرم نک او رسب ی سرا تك كك الى اورحذا لت یی ہوا الک انا 
در ےکا م ے۔ 

ال تھا ی »وان کے را ے بجلا ے اورا ی پراتتقامت عطافرماے -آمين 

ران وعد یٹ 

قال الله تلی ا عة شور عند اللو ناعشرشهرا فی کتاب الیرم خن 
السمَاوَاتِ وَالْآرْضٍ منهارعة خرم. 7 (سورة التوبه۲ ۳) 
وَقَالَ له تغالی نما الى یاقا فی ال یل به ال رها 
وَيُحَرٌمُوَْهُ عام آیواطنرا عة ماخرم لمخم الله .4 (سورة التوبهه۳) 

وَعَنِ ابن عباس ال قال رَسْوْلُ الله صلی الله عله سل مک اي من 
د ربک إلى لا زمی آنحرجونی منک ماسکنث غیرب. 

(مشکوۃص ۲۳۸) 


تھی خلبات لیمیا 
عن عَبْدِاللَه بن عَدِيَ بن حَمْرَاءٍ قال رَيْتُ رَسُوْل الله صلی الله عليه سل 
وَاقِفَاعَلَى الْحَرُوَرَةِ فقا له اک لبخرازض الله راخب آزض الله إلى الله نی 
اخرجخث منک مَاحَرَجُتُ. (مشکوة ۲۳۸) 
مر اضعب رَسُوْلٍ الله صَلَى اله وَسَلم مت یبن لایخ ال 
بَعْضْهُمْ نکب من هجریه ای اجَرفیها من ذار الشرک إلى دَارِألاسّلام فاجتمع 
روو و ر تو ع ع لوو رگ وت و ور پگے رة لاو رعو ررر لے ےو ی 
راهم على آن بكو االتاريُخ من مجرة اللبي صلی اه عَلَيّه وَسَلْمَ ثم الوا بای شهر 
بد فاختلفوا فی ذالک نم بدا هم أن يُجْعَلُوَةُ من المخرم. 
(تاریخ دمشق المهذب ج ا ص ۲۳) 


على خط ت ۳۵ شہیروتھا دتی‌تضلیت 


> ج ا لاد هين سم سبح ص e‏ ۔ .سس an am‏ كك 5ه 


دیرم ارام الاو جن فققاءر ےا هر يلس رو کر 5 
موضوع 
شیر وراد تک فضيلت 
مار ارم 


رورا لمن بقل فی سبیل الله افواث بَلْ ایغ لکن لا تَشْعْوُوْنَ 4( سرت ه۱) 
دوا تسا مال راو کرد سے یں » بده تلش - 
قال عَلَيْهِ السّلام ‌ئ) نب ال الدّينَ. (مسلم) 
حضو رس ال علیہ مرا قرش کسواش ید کےا مکنا معاف کے جا ی گے۔ 
هذاكقاب نيؤت 
نس ۳ ب لاک دب 
پراش لک 203 یقت 
كر م يز ركو ۱ 
آنا ول رم ارام سے بحعہکادن ے ہے ایک انقلا ل دان كو لقا متك بقع کے روز دل 
متام موی لیتسا لک یت تالک علا ووک اورک > میں نے جوا یت گیا سے 
اس فب وشبادت اواك فظيات سے ہے۔سب سے چیپ کل اشتعال یره 
رکه ردو رک لت ورگ بل 
حياة ترك امد ہو جات ہیں ء اس دا ری حيا تک اور خر تک تا حیات ا میب 
مول ال سك ا کم ردک ہنا چا سے - 
دو رک وج ی کرمرده : ےآ دی پر ایک ببيبت واشت اوروبشت طا رک ہو ہا ہے جن 
دول صل ليست »وبا ہیں ءاورشبیر گیب سحو صل مز پر ضیو ی اور بل وجا سب اور 
جذ هب رک اتا ے۔ چنا راک ملک کے چا روآ دی مر ہا نے پت لوده لك ککانظام ددم برقم 
چات ے اور بای عالت کا اعلان داجس بین ار کی ملمان ملک کے چا زا رآدى شبيد 
ہو جا حل نو ہیا ے وص انی اوروصت کے جذ بات ظز رلک ا نحت ای وقول ل لالہ 
کومردہ کے سے مایا ء بلا نکوای ک لیم :ایکا عطاک یا گیا ے جديا كاله كد ين کے لے اور 


عل خطرات ۳۹ شر شار تک فضلیت 
اسلا مکی سر بلندی کے ےی جانے وای لا یکو اعلام نے عام )انرب ' دی رو ال دیا »با 
کرایک متاز تام اند عطاکیا۔ ےک نکر برد ایک جذ بای کیفی تنسو كرحا ہے رال شید چو 
ال کے :ا مك سر بلندکی کے لے اپ ان تر بای دیتا ےہ اس 2 انش تال نے ا نکو يذ ى مات سے 
از > اوروہ کرد موق بڑاعا لم رتا سج يصو مرجا ےا2 ش ريه تکام س كرا نون ہناور 
ان کال اس ان عم اا ردو نايد ا نکی فی اورشلوار اجاری جال میک نکسی شیر 
کیو لول تبس زراب رئيص شلوا کے ل الک بے اکرا می ضہ ہد جا »مب 
کرای خو ن آلوو ہکپڑروں مل ناوراک عالت بل دہ تیا مت کے روز تال کے بال حاض روگ 

ای طرح دنا كاب اعالم ویصوثی وزابراگر ال مودت مرجاحا سحن وتم موتا ےک اس کول دو 

ین شید کے بارے سگم س ےکا سکنل دسي کی ضرور ت نی سے ,یگ اس کون ويك 

ةن کنا ےلیک ن یقت می مد وہر ے تم دیا کے پان سے دھوکرشمیدکوکیا ا ککر و گے »وولو 
ار کے يوادت ياك دیا سب» هد يشش ريف شل ے !ا "سیف مَحاء دنرب" لوار 
كناو وماد يق >- 

بی وج كساءام شاق کا ملک ےک هشیر پرجنازه با ےک کک ضرور ت کیل »ووفرباست 
می کہ جب یروا کے وار سے پا اک بكي تان کے لئے سار اکیاضرورت ے نیز ا سکومیت 
اورمرد ہک ہناٹ نع بھی سے اور جناز ہ یل ميب تکالفظ استعا لکیاجا تا س>- 

اہ احناف فرماتے ہی ںکہ ينيك ےک شید ياك اورمخقورہوتا ےلان جنا ےک از 
بذعا يل گے کہم اس کے در ہا تک بلندى کے لے دع اکر بل _اورخووكق شیر کے جناز مه ےکی 
فضیلت ما لکریں۔ ۱ 

غاص ہ ےک شجیداللہ کے نا مکی لمت اورم ربن دی کے لئے جا نکی بازى لكاكرقر بای دجا 
هللا دنا و خر ت مس اع از واكرام وانعاءات سےلوازتا ے_ 

جنا فيد کم سے روح نت ى جن تک دور بی اس کے دتا سے سے پیل بال ہیں اور 
يدان ادال دشار اسا بال يلاق جال يلكلا اوضر 
کی میس لاد سل نے تس شاد کوک رد لووكرد يا جد 

۶ز قال اد تون کے اس خی رکو ال ہلال ے | الا اذل جات کہ عام 


على خطبات r‏ شبيدوشهاد تک فضلیت 
بوک ہر چک سے للف الهاي اوري كاير سوا وں مم اراک نو کی سی رف ار 
تون ےاطف اندوز ہوک ررات سين ا کک ی کے جواررضت میں عرش شم کے سان تس زارد - 
عطمتوں کے ال شی ركوس اعز ازل جا تا كو دست راي اشفا كل شفاعت وسفار كر سك 
جنك نے جاع سے جن کے لئ دوز واجب مويك ہوگی هید دل میں گ كول صرت بھی بای 
موك ووه ےکا نکودوپارہ میران اد س شارت کے ے اما سے چا ہراء کے خی احاد ہت 
مقر سل ال‌طرر ارشادات عا ہم جد #ل ۔ 
()' حت برش اڈ عدر ست چ ں ضور اکر سل علیہ یلم جب شہداءأحدکا روگ کے 
بون فرما ل يك ہے بات بہت شد اکر بك ان شہداء کے سات أعد کے دتن ہیر 
ہوک مچھوڑ دیاچاجا_(ا) 
(۲) مت جار فرمات ہی ںکہ دا تعہاعد ے ایک دنل مم ے واللدصاحب 4 ےہاک 
مراخیال ‏ کل سب ے يحل میں شير موا 2 مرا ضاداكرواورا يق .نو لكاخيال رکو 
(۳) حرت جامڑفرماتے ہی لكا کوسب سے ياش ہی رع راوالدى ھا ٹس نے ال نکومقا ما حدم 
باق شبداء کے سا تع ونا دیا کن می رادل چا بت تاک لا لکودہال سے مع ینہ ل ےآ کول چنا رل نے جد 
ا بحا نکی توا کم کروه اک یکت بت وتا و تھے جس د کم نے ال نکورفا یا تھا مرف ای كان 
یں فرق تھا۔(بخاری) 
(۳) ای وف حضو ر اکر م صلی اللہ علیہ يلم نے خضرت چاه فر ا یا کارت نے تھا شہداءأآعد 
کے ا تھ پا سسکا میا بین تیر والد سا تج الد ن ےآ ےسا سے باتكل ادرف رما کیہ 
اب هرت بندے ما کیا اه اس نے جواب ديا کہ اس مولا!! کے زند کر کے دوبارہ 
دیا تید یک چہادکر کے پچ رش ید ہو جا ول ء الد نے جواب دی اکم رنے کے بد ردنا سل ماتا 
کل ایک روایت میں ال قص يبل اتنااضاف > کان تھی نے فر مایا کہ ہی موسا ےک می با رگا 
تمنااورصال احوال دنياوالو کو بتادو لكاءاس کے بعد رآ نکر مل اشة بتاد با - رت 
(۵) خضرت جابر ‏ مات + لكل جب حطرت معاو ین اراد وکیا كاعد کے را نہر 
کھدواۓ اس 2 آپ نے عام اعلا نکیا اکمیدان اعد یل ن لوكو سلبشبراء رون ہیں ودرا سك 


على خطرات - ۸ ید شاد تك فضليت 


n o E E اجہ‎ 


وت ما روما میں ہم نے جب ز ان كود ل می نے اچ دال صاح بكوا بيه یے ابا ويا رورت 
ہیں جم نے الل کے دول می كرو انان مور کود پیک ھ اکا نکا ہا تدان کے مق » نسب ا کا ہا کے 
ان کے زم سے پا اگیا تو ٹم سےتاز وتاز وخون جارق موايتجداء الى كوي لكل می رفا ے کے ہوں 
اورا نک قرول سے میگ ورك نشب و يمو ث ری »جب پھاوڑ انطرت ہز کے رم کات ای ےتاز 
ون لگاء داقو شہداء کے رقا نے کے٢‏ سال بعد شی ]انها ١‏ (البرايواتباي) 

 )١(‏ حضو ر اکر می او علیہ ول شہداۓ اعد کے من کے يال اکر اس ط رع ملام لکمر ے لك 
"سلام عليكم بماصبرتم فنعم عقبى الدار“ اورپ نے فرما اکتا مت یں جوک یق کر 
یناب دسية ل اپ رمدت رن وق خر 
ان ی یمحر ت کی ان شهدا ء قبرو ںکی زیار یک رل کر تے - 

)2( ایک وق تضور اکرم کی اذ علیہ وک مک خاک ساتھ بده تریب ال چک يركز رہوا 
5 کیک یا رسول انم ال چگ سے جیب خوشہ وہ وکے ر سے 
ول حضو ر ےر مایا وش وكبول د ہو ها ل عبي رشبي رفون میں 8 

)۸( ایک وف تضورلی ار علیہ وم ریا اورحیدکی طرف ایک جبادى م فرفر مار سے ےک ایک 
ديه الى بھی سل بذ ا ایتک سا نگ تن ہواھا اس دیہان کی سواری جب تضوراکرم سے 
قريب مو چا ت سیا ہکرام تفت کے یی نظ را كو سک فر ے تضوراکرم جواب میں 
فراست "3غوالی النجُدی “ال د ہا د کک رےقر یب ر ےد ”إنَّهُ من مرک ا 
کیوککہ ہے نت کابادشاہ ہے جب میدان جنگ شل انیا تود با ن کہا کہ یا سول ادس یہی مسلمان 
:دجاال پیل ون ضور ےر ایا کہ پیل مسلمان موا و 

چنا یہد مان »رد-22 شبد ہو کے رتضو اک رم مکی علیہ وم نکی لاش کے باس 

آ کر یہ کے اوراے در کھت دسا کرات ر سے پ مرھد بسن م مو لي ان من موڑن ےکی 
111111111110112 
ناز كا نہر دہ راک اور تیک كيا تھا اور ایک دم ان بلنہ در جات پر فا موكيا يل ای 
یالت فنا لآ سان سے حور لآ أ بل اوران کے باس بكس فو مش نے مناس یی ںچھا کہ ان 
حورو كود حول جوا لخبي رکیل كل ہیں اس لئ یس نے مدر موز ليا 


می‌خطبات ‏ _ ۳۹ بيد راک نضلیت 


وف 
حضو ر وکرم سی الطدعلي یلم نے اپنے لئے شہاد تك تابار با رک ےکس چا ہتا ہو ںک اف کے 

راس میں مارا ہا ںیھر ند ہیا جاوّل» رما رااوّل» پچ رز ند ٥کیا‏ چا > مجر ماراجافے لپ رز ند م لیا مال 
ارچ ماراجا ال ۔آپ نے فر ایا فرش کےش ہیر تا مكناه معاف کے جا میں کے ۔تضور اکر ى اوہ 
علیہ یلم ریا كص جباد کے راسے می شی ہو اتا ےا تيمت کے روز ده الل عالت مس ےکا 
1 کے ار ےکچھوڑر با وگاء رن ک لو خو نكا موک كرا كل ومیل وک کی طرں ہوگی۔ 

ایک حد یٹم ظول ارم و ر ان كاش تیال دوا ریوں اب لكو کک ےکر 
ہے( خوش ہوتا سے ) ایگ و وہ ابر سے جوانرگ راہ سپ ے ل تے ہیر ہو جا تا سے را" ںک ۳ 
ملران مور چہاد لش یک مورلا ےل تے شمیدرہوجاجاے۔ 
2( جک بر سے موتح رجض ويل الش علیہ سلم نے فر ایا ای جن یکی طر فآ کے وت کی جو ای 
سا وذ من سےزیادہ »یرما ےر میا واو واه تضورسلى ٹر می کم نے غر مات نے 
رک كبا ای نے جواب دياك يا رسول الث ٹس نے اس نك ہے با کہ ٹیل جنت والول كل سے 
بجا ال حضو رسای اٹ علی ہکم نے فر ما كلو تی ے ایس بت می جود کے جند دانے تھے وہ 
کارت تے ہآ پ نے فرمایا الكو بات جباسة ب ايك طويل زنک ے ےک ہک رآ سين جور يويك 
د ےاورلا ےا شید ہو كك 

ایک جد یٹ میں ےک شی رگا تال کے بال یراع زازات ےلواز اجاح ہے )1١‏ يمل فطرة 
خون برا كوبش ما ے (۲)جنت دل ال كوا كا مان دکھایا جانا سے ( ۳) عذ اب قرس گنو ر ہا 
ہے( )اس سكس بعت وت تک الیما تاج رگا ےک جن لك یک مولى دنا اھ سے مب موك 
(۵) ورن میں سے بہت رجور می اس کے کا میس ديا لكل )٦(‏ اوران سكس( ٠‏ ) رشت واروں 
کے لے ا سک شفاعت قبو لها ےکی ۔ ایک اورمد یٹ می ںتضور اکر کی اٹہ عل سلم نے فر ایی کے 
شر مو تک صرف اق تکار فو ں کرجا سے بتاکم ایک لكا سے نی ولا ہو۔ 

ایک عد یٹ میں تضوراکرم لی زرم نے فر اي كا اش کے را سے میں شہادت دنيا دا 
سے یادہگوب ے۔ 


(۱۰) ضر تج رفارول” زان لك دج سا شلک رك یی بن س کا رہ 


کات ر نانوی 
رآ کرم میں سور بر ویج لكي ا گیا سے كانا مكبد الدج متها اور جود ین یبوط مو كا تھا اور 
صاح بکرامت توافت نے کر ن ےکی کرک ین ناكام دپ رل کے نے اين 
لک بات بتائ کم شرب الغلا کلف ابل مھ تیر مارو یہی ہو جا لكءبادشاهذ ای کیا ڑکا 
شید وكيا اور عاضر بین رادو ںکی تخرد مسلمان بمو گے پر بادشاه نے س بکو لک نا شرو كردياي 
صل تہ سے جس شریف مس ہے جرال لڑ ےک کل فو وبال مو جو دحا نے دیھاکہ اس 
نے اسية زم پر ہاج رکھا اجب اپ ال کپ مايا و ار کی طررح خون رن رر تع کو 
تکھا ا آپ نے فرمایاکہ ا یرای قب رٹ باوث تال نے ق رآ نکی صداوت کے لئ اس 
کوظاہ کیا ےکک ول سا هرک ہی را لطر رنه اور وتازور بتاے۔ 
۱ بنا کروند خش رسے ون و ناک غلطیرن 
غدا رضت کنر ايل عاشقان پاک عیشت را 

کرم سأ ن! ۱ 

ہے چندهاقعات یل نےآپ سكسا رکد ے امت فرب وال امت ہے ء اور امت 
ال دی م ٹا نکن »ال امت کے سب نادرم ورس افراد 7 
کرام سے ںان ی سے مرن اک کاب هام‌ید »هک ہیں تب باکر اسلا شرق مغرب میس پھیلا 
ولاڈ ار ےجنس لكاب كرا م خون ہکا ہاور و اونما لكك ہے الا کرام کید فان 
شاول - 

کم مها بكرا مکی طررع تال دی اسلا کی کی تا باس امت 
عل ر فرت کان یرل ہو ئے بای امت 2 لاکھوں ہا مو جود نل مل چا کران 
رام کارت مو ںکواپنا بل اورشہاد یک تنا لديل بک صرف احقا ر اورجلوں اليل »رح 11 
قیہاں انا تا کرت ین نادت وش كه رتاش تا رسول یذ 
علی وم نول 2 

اودأ م دود ول »ان کےگردا رکا کی نام یل ليا ار دا کو ينا ب صرف ات تی 
جلا نا ریا دی کا ان “بيده لكا دن مناۓ م یرگ ان لاکھوں شپیروں کے 
کانمن سکم ہے؟ بر کیا ےک کی یں )2 


010 5 ۳ ہیر شاد تک فضلیت 
برعا ل حطر تم نکی اشامت ,آي ناشن ن هآ پ ےبد کی »الاو 
کیان سال تھ کرو اسے رسول کے متف بل ره ارت دلوم تک ما کت نوا نکود يناعا کے 
ها اسلا مکی سفید ادن ایک بہت بادا سے دصار اطع د کت ذا ين 
رسول کنو ا تلکیس ن ”يقت ہہ خضرت ان ری ار عت سے ان لکوفہ نے نار یکی 
ی اماه را رآ دميو لك طرف سے پذ ارو لوط ےکآ پ تا مقدل سكوف جا می م بيت کے 
لے تیار ہیں1 نے سم نشی ل کوک لوفو لے ان کے ساتھ تھ او رش مکوا شاه زا جات 
نار ہآ وی رہ گے غر و بآ أب کے بعرو بھی ناب ہو گے ؛اورسلم ب لش كردي کے »ار 
عفر ت سو امیا نک باتك ينك ےکسا حت کیان یاه ماب کے لے فو میس دی 
اور بیان کے ول کیک بت مین" شہید ہو گے ۔آ رع جولول مان مر سے و لتقيقت بی ےک اش 
وگول کے چوا برع مز يربرب لذ دار ہیں رتخا مار ے ایا نکی تفا لت فرب 
اشن یارب تن 
رآ ن وعد مث 
همقل ف سب الآ بل حي عند ريم يفون (القرآن) 
رذع تفس محمد ید رد أن آغژوفی بقلم عرفل ثم 
اغزز فافتل. (اختصار الترغیب والترهیب ج ا ص ۲۸۳) 
مایجدالشهید من مس اقلا کمانجد اعد" من مس القْرْصَة 
(اختصارالعرغیب والترهیب ج اص ۲۸۳) 
لشهده على تارق تهر یاب اة في قي خضراء یر عليه ررقم من 
الجن بُكْرَةٌ وعَیِیا. ٠‏ (اختصارالترغیب والترهیب ج ۱ص۲۸۵) 


على خطبات ارگ اش کات 
تعر ارم ارام ۳۱۷ ایو ےاجون 2 1 امع رید ما رو ماي 
موصوع 
م ای بات 
مم الد ا١ی‏ 2 


فل می ى بن شس این مم اش ے 
حل طرف وجو اهر اش ی الہ ے 

فد فلح من تَر گی رد گراسم رنه فصلی4 وقال تعا لی رنه من سیم نوا 
باشم اللہ الرخمن لن لحم آن لا تلو ال وَأتُوِیْ مُسْلِويْنَ4 وقال تعالى لإ بشم الله 
مَجْريْهًا ومر سَاهَا ری لَعقُورَالرَّحِیْمک 

َال سول الله صلی الله علیہ رَملَمَ كل رذ باللا يبدا في باشم الله 
فهوابتر کل ری بال لا یبد شم الله قرف ررواه ابوداود) 

كر محطرات! 

سم اش رگن ارم شس ال تھالی سکن ميارك نام در میں ء يبل ناما ے۔ تال 
کا ام ذ الى امش اور خاس نام بادك تفال ہے۱ اس سكعلا ده القدتق ال کے حت نام ہیں وه سب اساء 
صفق ہیں تن ال کے صغات نل سے کی صفت رن کے ادر خالل ہما لک ہداز تی » ونير نام 
ہیں اف ارآ شیم ۷۰ ۳۳با ریا ے اوري ام امش مکی بفیاد ہے اور ج بکک ينام دنیاٹش 
کزان با بت متآ ےک جب ديات ينامأ اک اود دنا سکہی ںبھی 
کول اش انس دالا بال شد پا امت بر پا ہو جا ےی ۔ 

الل کے بعدلفظا رن ہے یال ءا تلق دنا سك بڑڈے بسا مور سے سے الله 
تا لصفت رم ت كا مظبر ہے ۔ جوقام ال دنا اوتنا مک نیا کوشا می ہےگو کہ اتا یکی مفت 
و یت عمست ا اع سب رم رب العام نك بويت عام ہے اک طررع رما نکی رعت 
عام ہے ایک ددایت کل ےکا تال یک رتسيل ہیں تا نوس رقتو میس رف ایک رم کا دنا 
یور ہوا ہے اک کت سے تام انان ادر جنات انيدان بل میں الفت اور شفقت کشا 
کر سے جیں :اک صف تکا 2۱ ہ کہ پل س بکا تا کو عا م ہے پا عا م ہےہہواعام ہے رز عام ے 


على خطرات مم “م الك بركات 


يات عام ج» اوربص راوركم ڈیم سب انس و كوعام سح ب بھی ان ججز وى سلم او رکا رکا فرق 
كل چایاجاتے۔ 


اے کر سے کر از 7ا نیب 
گر و تسا و ٹہ خر «ارى 
ا ےد هک بادشاونس کے دصت ے بت يست او رکٹ برس بھی با اعد دوظي ہکھار ے ہیں - 
ال کے اعدا م رتم ےیگ ا ی سے کن ا لک ںآ فرت کےامور سے دنا 
رشرویراییت ءا یمان ولو ل اور رت کے اعما لكا میا ہونا اک عضت کے متا یرو لاو ری رال صف تا 
لبو می را كش ربل ہوگا جب تیک وبد ی۲ ںمیٹرکااعلان ہو چا ےکا _ اور اس طررح اشرتعا ی کے وفا دا راور 
اطاع تک ار بتر وں بصت ر واكم لطبو رمو جات ۓےگااوران تو کل بارس ہوگی کی وجہ سے 
کش روایات می لآ یا ل يارحمن الدنیا ويارحيم الآخره؛ ےد ٹا کے رن اور زت کے 
رتم اوراكاتقيق تک طرف بکرم 
روتان. را 1 کی خروم 
و کہ با شان نر دارى 
(۱) رت ای کو یھ جویسم ری ر تی تو آپٌ_ذفرایاا ںکوقوب خوش خط 
1-13 1 111111111 
روایت کرایکآ دق نے الماک جد اور حون پر رکھا ا کی کیت سے اله 
تقال ےا كوكش ديا ( شيرق ری نا ص9۱) 
يكام سے يمد دم الد ڈص اکر يل ! 
اعلام نے رك مان کے نام تشرد ےک براي گر انسا نکیا پر ند كار رغ اشر 
طرف دیا سک رم قزم اور انان ہے ال قكويادركعاك#ءاوردل وديارا یر مروت بجی 
مبارک :ا مق بوک وت فا مب ناک لے حضو راکم صلی الوم فا رده وکام جو 
مم الف سس شرو رع کیا جاۓ وه بے ہکت رت اف شیف ملمان کے لے مناسب کاک کے 
کھانے سے يكل کم اللہ ہو سونے سے يكيل ام اللہ بر »كير ايت سے پل مار ہوہ کے بذ عن 
ادد پڑھانے سے پم الد ہو دكا کات یط مک ای موا یط رح ایک موک نا یمان کا- 


صھیخطبات ۴۴ الک کات 

یقت س ےکا ککیادمانہء اب ایل کے اس مارک نام ےم بوط اور چ اہواے - 
کت ال وا ےکا يكقيد ہوک کالم کے نام س ےکھا تا مول »لد کے نام سے چا مول او راد 
کے نام تسوا روت ہو اللہ کے نام سسؤت #ول» ال کے نام سے بذ نا ہوں »الثم کے نام سے ما 
»نبرک مناسبت سے وه افش کے نا موز پان بلا بيك اور هکت وروی ل کر رکا _ 

ای رت و رم اللرعلیہ یلم نے خضرت ارس ف مایا اے الو رد جب تم وضو 
اهوم ام رهوج بتک وضو سے فارغ نبل ہوں کے اس وق تکک معا فا فرشت ری 
یا رن گے۔ جب١‏ نی یوی س بت ی کے لواو م اللہ ول جنا برت کی فرش تیا 
ركس ان جار کے تشاک پیا ہواقذاس کے اور ا کی اولاد کے سانس لت کے 
مد ایا ءاس اب جر وجب( سوارق سوواط دا رقم 
اک کک کی یی اور ج بت قاروا ار وج ی شتی ے بیس 
آ گے رابت ری یا رای با ںگی۔ (فیریر) 

ایک دوا يت میں ترت ال اف ہا سے ہی ںک رسول اور صلی او علیہ وم نے فر اک انان جب 
اس اما چقذان ی شمه اورشیاشی نک نظرول کے درمیان پردوصرف یہ ےکرانان سم ار 
ارام پڑ ے۔ (تنيركير ئ ر۲( 

رت عا تش ری اللکنہاے روايت ےکہرسول الڈی”کی ال علیہ یلم نے ف مایا جب تم میں 
كو كدان کھا ةف يجب سم اللہ ولیک ساك تداع لو كيا اقا ےکآ خر می اس طر 
هی "بسم اللہ وله ارو" 

ذا ترم 

کھانے سے بيلكو لم اٹول جات سے كه کے بے یمان سره 
کہم چا دقت اگ رم ال که سےا بھی بت صمل وبا 

رت عا کش ری انا کی ایک روات میں ضور اکر لی شوم اين بك 
ال کے سا هگا ہکھار ہے ست کا مل ای ککنوارد يهال آل اورووتی مول یں سا راکھا نا چاٹ' 
اک لی لم نے ف ياك يل بم اث پڑھ تا ت کھااتم سب کے ےکا ہو جا 

کچ ہی کر تاعیام ن هد اللہ رایس الله مجرے هاومرساهاء 


بات الا _ مم ماگ بركات 
و وفان سے جات ات نل ات ل بم الد عتا ہے دوضیات سے کرو 
ای‌طر ایک اور ر دات هل ے ضور اکم لدع وم مار نے عو کیا یارسول الم 
بھمکھا کھت ہی نکر پہی کی لس »پل اٹہ علیہ همم نے ان سے پے چھ اک شایدقم لول الك 
الک کیا نے ہو؟ انبوں نے جواب دیا ال اک ال ککھاتے ہیں حضو راک رم نے فر ماک ہیک سار 
کیال اکر واورابتراء یش مم الدب ایا کرو کھانے یل بركت موك _ 
خضرت ای نی ى ال عد رہ کے ہی لک ایک وف حضو راک م سی اللہ علیہ مع متخ ریف 
فرك او رای ےآ دی کھا کھار پا تھا ین ال نے ابقداء ٹس یم رل پر ما كك ج بکھانے 
الما ر ہگ توا فل أٹھاتے ہو ” ابسم الله او له وآخره “یڑ ليا اال تضور 
كرما ينك او ری فرب الرشيطان لاس ات کھارہ تھا يان جب ا ےآ مل مم الف يذه 
ایا تو رطان نے جوب مایا تھاسب ةكردى- 
ایک اوررواييت حت حاير فا تج شس حضو سے سنا ےک پل لدعي 
وم ےرم اک ج بک آ ولگ رش راق ل ہوا سے اوروہ وال ہو تے وقت اور رکھا کا تے وتک 
دم اپ لت چا شحیطان اپنے ستول كتاج لهاس كد یہاں سون کل 
کھانے کا موںحع سے -اورا رد لگ رشن داف ہوتے وقت لسم الث قر عت يل نكما ست وت 
یں تا و شیطا کت ےک رکھا نات ت مکو ل ےکا ین را تزا ےکی يلال -اوراگر دول ہوتے 
وفت ہکم ایند تا سے اور تک اکھاتے ونت بد تا او شیطاا نکہتا ےک رکھانااورسو نا دوتو لكي - 
( ماع الاصول رح هل ۳۳۳) 
رت این سود اور انار او ره رف ال م لسن بعد بیت زر ای ےک ضور 
رماع ملم ففرا جس نے وضو یا وقت ‏ ا ماک 
ا سا رش نے ريات وق کم شش اق کے صرف اخضاء وضو پاک ہ٭ جاتے 
بش (مقلو وص ےم) 
خلا ص كلام لا اک هک اللہ کات کے انظبار ےد وى وأ روک بركات ادرف اتد تنل 
رن نيا یش ایک مرکا ری اور نان ہوا ہے :شس ججز يده نشان ہوگادہ سرک دی تفاشت یں 
كل ءاو كولأس یں ےکا كل ای طررح بسے الله الرحمن الرحيم اتل 


#وخطات ٠‏ 2 “ماشلل بركات 
ےہ م جح ےج ہہ ےش م سڈ شس مم م و مو ع صر م سس شش ہے 
گی طرف ےغاینثان ےکی چ يرا کی م نظ رآ سے کی دن ری بک ںآ یکاک مارا رہ 
بنا حا کہ جب زندہ ولمم كيل مم الہ اور جب مو تآ سے ل م اه جب تبرش 
سوال ہو كبيل »کم اوہ جب میدا نکش ری لآ یں كتيل كم اہ جب نامسد اکال پت میں لے لی و 
یل رسم اش جب وز اال موو ہیں اله جب پل ص راط یا دک یت یں کم الہ جب ج میس 
رال ہوںئو یل کم اللہ جب القدكا د یداو ول م الب 
يا حَبَذَاذَاک الْحَبِيْبُ الْمبَسْمل 
جب عکومی ری لا قات ليك سے ہوک یق ای نے کم افد يذ ولیا 
واوواہ مم ال کے والا یکیو بکیا ی اما تھا 
یم اید کے تلق چن رح بات ! 

حا مرا: .هرت می ی اعد ر نے ہی ںکہ جب ت تضوراکرمم کے پا كوا سن کے لئے 
مار ہو جات وج بت ورگ اذ علیہ کیا ےکی ابتقداء نف ماتے گس کیت لگا کے ۔ 

ایک دف ہکا کر ےک ہم س بکھانے پر عاضر ےک اھا یک ایک لونڈڑکی اس طررح بے تار 
دق لآ اک کی ا کو ہا تک در باسجء الل نے فور اکھانے مس پا ڈالنا ہی این رسول ال 
اق علیہ عم نے ال کاب تح کیا ال کے بعد ایک د ہا الى ط ررح دو ڑج وا آیا او رکھانے یی ات ڈالنا 
چا ہا ضوراکرم نے ا کاپ ری لیا پر حضو رغ فر مایا حیطالن نے چا اک این لئے اس ط رح سے 
کھانا مہ اکر تک ی اود کےکھانا شرو رح كرد ے باو وہ پیل ال لوٹ ڑ کر لابا ل نے اس 
کت باب رشیطان الى د با یکو اکر لا ٹس نے ا کي خدا یمان که 
ان دنول کے باتحول ميت میم سے پا هلا ہے۔ ( پا الا سول رخ هش۳۳۲) ۱ 
حا یتب ۳: تیعر روم نے ام امون حطر ت عرفا رون ای ع کو ایک خی العا لمر 
سل بیش دددد ہا ےآ پ كول دوا ی ديل - ايرام وش نگم رفاروق رش الث عنہ نے ا نکوایک وا 
روا کرد یکا ويبنا رتم روم جب الى و یوس کنات ودر پار تا يكن جب لو لي ہرے 
شا در #د چا جا »شاه روما کی ب چب واه ای نے ٹو یکوکھو کرو لا نواس یی کا کا ای یک الا 
ل برسم ندرک ری کھاہواتھا۔ ( ری 2 


سس سک ل ل کت 
ارم ریت مال جن لی شی اعد سے فارل کے سيول ن ےکیاک یہت پ اسلا مکی 
انی تاركو یکر تے نل اپ ال بے كول زشانی بتلا بل جاک ہم سل قو کر ين حطر خالة” 
نے فر ما اکآ پ لوگ زر قات لا ۳ ٤‏ رکاایک بيال ےآ ۓ خضرت خالمنے پیالہ لگ رہم الہ 
القن ارم ےل »اورساراز ہر ف سك او تلکیس ہو گے یرل كبا کم یرد ۲ 1 بلق 
اد ين چ- ( ی کی رئا۱۷) 
انرم ایگ الٹہ وان خوط انراز سے سم اللہ لن ارح کے وی اور مر ویس تک یک 
مر سے مرنے کے بعد ا سکومہ ر ےکن هل رکر وو کی نے لو ھا اک ای لآ پک اکیافائندہ سے؟ لوه کے 
کک ےک سس قا مت کے روز اس اب ےکہو لک کے اے هیر مولا توس ایک خط كيبا تھا اورا 
خط( سآن )كا ید رتا “م اللد رن ارم جع يذ خط کے ذر لچ سے مرس سا تخد رت 
کاموابل کے _ ( یکی ررجاش۲ع۱) 

سی رآ نک ب رورت بمنزله ایک خط ےاورا کاپ اورسركا ام نالرت ارم ے 
رار رست ے۔ 
كيت ره: کے ہی ںکہ موی الام کے يبيث لل ايك دفشد ید وراشا آپ نے اللہ 
سكسا ا یکات کر کیا ابش تیا نے جل ييل ایی مک یکھاا لحاس ےکم دياء ج بآپ نے اسے 
کھالیا و الہ عضل ورم ےکرک موك رصم اح ر یھر ے درداھا توموی لاسام کنو وا 
كعك طرف جل کے اوراس ےکھالیا عر میس مر یر اضافہ کي خضرت موی علیہ اسلا م نے اللہ 
تفاس درخواس تکاس اش جب لكي ادرا ىكحا أوكعاليا تو رک یراس دفن مرش 
اور یڈ گیا ءاللدتاٹی نے جواب فر مایا کہ یم میرے نام سے ا لھا ل كل طرف کے ته 
تز خفاحائل »اب اس مرح یم انیم شی س ےکھاا کی طرف سكع لو مض بط مکی کی یں معلو متيل 
که وکیا دازم رتال اورا ی کے لے ت ,ا تههرانام >- 2 (قیرلیرنالع۷) 
ما یت :٦ ٣‏ كت ہی ںکفرعون نے نو الوبیت سے يكيل ایک مکان :نايا تھا اوراس کے 
ارس درواززے بردم اي تھاء جب رکون نے رب ہو کا دكوئ كي او رترت موی علیہ السلا 
نے ا نکی طر فآ کرو حیدکی دكات دک اورفركون نے ا کا کیا او موک علیہ السلا م نے رماي کہا مولا ! 
الوس نے دكات د يد يكن اس می لول ف روبجلا یں انش تھا لی نے فر ایا کہا سے موک 


على ذطرات رم اش بركات 
شا لم ا سک باکت واج وہ 2 دبلاک ی بو وم اس کےکفراور لاک کور بت 
لن یں اس کے دروازے يك مو لاد د تي کی را ۱۹۸) 
وکا رے: حم ے کسی علیہ السلا مکا ای کترستان زوا آي نے د اک ایک مز د پر 
ل عزاب کےفر م شت مسلط ہیں اورا کوت رش لنت عزاب هد پاے؛ آپ! کے جل گے بودي کے بعد 

آي وای لآ سك نود كما برا نس کے اس رت افر شت _ نونک ساد موجود ہیں اور 
روا توں سے اف ائرد ور سے رمل اللا کہ تب ہوا آپ نے لھپ کرالہ 
تال تدعا رصتقي کول دس ءادتعال نے وک جکرفرمایاکرا ےیک ! کنکارتھاء 
جب پگ نوات ےنا مو نگ وجہ سے عاب قب ريل بتلا موكيا مر. ے وت اس نے ما یوی جوز یک 
+ سکابعد مم ایک ب پیداہوا »ا لکوت نے ال ےگا پالا اور جب پےہڑاہوا تاس کورت نے ام 
وکرو تم نے ےمم کلک کہا باع انار چ نے پڑھناش رو کردا 
تو کے حا ہآ کرت لاوز بان کے یچ عذاب دےر يمول ارات کبیا زین کے او رانا م 
نےراے۔ ( یری رحا ۲ےا) 

سن و ابن ارک ذبان ست بتاکم یں شرو لرتامول الہ سك نام ے 

جد بذ ابیت رتم دالا ہے۷ بي بك بر بان اودری مر نے والاكبتا ہے اس ك کے جا آگ یکر یں 
سك با او اب ييل بتلا رکھوں۔ 
جات ۸: وک یکتاہوں بی ککھا ےک ایک ضغ« نهک اللہ الین رم 
كات كان مان لاو روت کم در کت کون »ار بلڑی ے 
وال إن ال سس كت ارال ہو كك اوروز یر نے مرکا رک طور بر ایک توس پر الکو لكرنا ہاور 
منصوي امل ررح بنا اس نے ده عبرو الى یسک جوا ےکر دی کی سے کم اک کروی 
جیب شمں رک دى دا تکو باپ نمی طرئح وى ث جب سے دہ کی پیا ندر یس چوا ری 

وبال تفن ایک مجحل نے اس اكب یکول لیا اور رف یر سے نے گی اسے یار ای رکا 
وز یک ےگھرفروشتکردی زک سر نے ارگ سل کے یرپ ککیا نايك ده 
کل کی نے مم الہک ری جیب تالک جب دز رٹ ےکھا ھا یٹ سب 
اک دا جانا ہے هر داز دید ود کی نے مم ال دکپہکر جیب کدی ل کروی 


بات ار 0 اسای‌جرک جا رت 
و ارک کے ددس ابل ابیت ران موأرره كت اور انشری اریم الفدگ برکت سعد ىك جان ی 
اورسركارىمنصو رن كام موكيا - 
میم آم طخ مر مش 
مد روا مر كل کہ وائر ہر خش 
ینیم شرا یعاس جوک جس فش کے ماش یا کی حا جت رک ہوگی۔ 
ایر تا ئی تام سرافو كوم انی بركا ت ے بل لرا سے -آمین يا رب العلمین 
رآ ومد یٹ 
قرا بام رک الَذِىْ حَلَقَ. رسورة العلق آيت ۱) 
عَنٍ ُن اد قال ی عَبِبْنُ یی الب هَل تَدرِىُ ماخ العام قال قلْتُ 
اف قافن بشم اللہ (مجمعالزوائد جه ص )٠ ٠‏ 
مرول اه بي بط ادها غزابی لاثم َال سول الله صلی 
له هلآ اه وقال سم اللَّهِلَوَسِعَكُمُ. (مجمع الزواند ج۵ص ۱۱) 
إن سَيْطَانَ الکافر يَلقَی شیطان الْمُسْلِمِ فیری سَيْطانَ الْمُسْلِمِ سَاحِبًا عبر 
هروا قیِقَوّل له شَيْطَانُ الکافر وَبْحک مالک قَدُ علکت فیرّل له شَیْطانُ الْمُسْلم 
االله مَاأصِلَ مَعَهُ إلى شی إا عم دذکراسم الله واذا شرب كر اشم الوا دحل 
یه ذکر اسم اللہ (مجمع الزواند ج۵ص ۱۱) 


على خطباتکائل ۵۰ رک ایی کین م ہے 
ےس ہے ہے ہے ہے ہے ہے ہے ہے ہے سے ہے ہے ہے ہے ہے ہے ہے ہے ہے ہے ہے ہے لے 
تعدا رم افھرام ۷۱ن ۱۹۹۵ء یداعم بن رو ذكرايى 


موضوع 
كاي ليان تم ہے 
مم انشا رن ارم 
ا اه لا يعفر آن یسرک به ویغفرمافژن ذالک لِمَنْ بَعَه من بُذرک 
بل َقَدْضصَلَّ ضَلَالَا بَعِيْدَايِ ‏ (الساء آیت ۱۱۷) 
انه من بش رک بالله ففَدْحَرَمَ الله َليهالْجَنَة و راه التار4 (مانده آیت ۲ع) 
راد فال لفمان لاه وهو يمه انی سرک بالل إن الشرکت 
له عَطیم 4 (سورئه لقمان آیت ۱۳) 
وعن ابن مسعود رضی الله عنه قَالَ قال رجل يَارَسّوْلَ الله ی انب بر 
ال آن تذغزا هید هو خلَقک. ‏ . (متفقعلیه) 
وَعَنْ داهن غمر رضی الله َنُه ال قَالَرَسُوْلُ الله صلی الله عليه وسلم 
لبر شراک الله عرق ان وَل لس وان امرس 
(متفق عليه مشكوة ص> )١‏ 
رم عاض رن ! ۱ 
الام نے بڑے بذ كنا ہو كل نش رک کی سین ريدت مہ ہکی نظ ريل شرک ے بدا 
كول گناو لے جوت الد جارك وال ری ندرت وطاق تكاءا لك ے ہر کی خو ول اورتقام 
صفا تك اليا سے تصف ,اج وی + شعب می اوج لكام شل الثدتقا کی زات اورا سکی صفت 
کا لکوچھوڑکردوسرو ںکی طرف با ۲ ہو ووتو ری طور ہر یا خی أعوربی طور اڈ تال یک كسار > 
اوراشتعال یشان لاد یکر یاوه كقيده ركنا ےکا كام اورا ی فت می ارش تی كال 
کی ے اس لئ انی عاججت براری يل دو مرول سے اده جو یکر ف ىوس کرجا سح »اس مکی 
کت سے فو دنیا کے ده و بھی غصہ سآ ك بول ہوجاتے ہیں جتن کے پات می كول كام اوديكه 
ايا داو رلوك یں مورک ایی ےت کے پا جا میں تلن کے پات مل نو كام دار فا رب 


می‌خطبات ا۵ رك ایک مین جرم سب 
بجی وس ےک را تال شرك سے بہت ناراض جوا ادج س ےک د ین اسلام ل شرك ایک 
بہت بام ہے :اکر یآ د یکی وآ اورا کے دل درا شرک پا ہو هرق میق یشم 
کے لے اہو ب پادہوا۔ 

اسلام ل دوسرے بس كنا وى نانک" ورمعل کا کا نی ےک مات 
کے بعد معاف ها لب نام السلا مکی شفاعت لیب »و اس یا فش شفا ع تک میں ہیا علاء 
اوص٥لا‏ رکی شنا عت نیب ہو جا یا الہ تا لی خو خر یش دوزرغ سے شی کرک ركنا كارو وکال دے 
یاک احادييث میس کور سے لین اكرول نص شرك يرعراقدا سك شفاعت کول نیک ہے ہن 
فرش یکول عالم .کر تھا لی نے ا نکی شفاعت ب پا بن دک لی اک سور نساءکی ناور بت 


كام جم ے! 


”یک ال تھا ی ا لفط جرک یکو یکاش ری ےکر ے اورا ی کے 
سوج سکوچا ےش ديا او ری نے اش ش ری کک رایا 
وو کرد کیگری می جاب 
سور یا تروك کور ہآ ی تکار ج ے! 
یک نس نے ال تھا یکا شري رایت وشن اسف ال 
ج ترا مکردکی اورا سكا انا دوزي چ 
سور لقا نکی مرکو ر ہآ بی تکار جم اس طررح>! 
"اور جب لقان سا اجب ا لاس كلها هر بے 
شيك ئیو الیکا بے شک ری نبرک بےےانصائی ہے 
سور رع کی ای کآ بی ت کات جا ی طرں ے! 
"ارحص نے ش ریک نشکا سو یکر بآ مان سے با کے ہیں الكو 
أذ نے وا مروارغورءياجا ل ال ىكوبوا کے کی دورمکان مم '۔ 
نش نو حیونهایت ال اور بلند مقا م ے ءا کچوک جبآرى ىلوق کے سا نے تاپ 
توووتورا سیخ 1 پکو زی كرتا ے اورآ سان یر بن ری ے لیر کک ی یس اگ رتا هامر > 
کال تراد عقام رنه یس ابا اکت او می ايت ہلاک تکی دوصو رل الہ 


تھی خلبات or‏ شر ایک یج سے 


a‏ سد 


تال نے یا ن فر ہا ہیں یا فوافكارردي اورخواہشات کے مردارخوار انور هارو ل طرف فضاو وں ٹل 
ا کی بویا نو یت فو کرکھا میں بیط نون تی ہوا کیک 1 زاس اک 
اوري ال ےمگہر ےکم ے ش یک 7 چا ںول ری عل اظ رآ ی اور وه چور جور موک رجاه 
ہو جائیگا۔ بہرحال شرك اورشر كك تا ہکا رکا ہے بذى وا مثال ہے اور رآ نكريم میس الشدتقالل نے 
اسک دوسری شالس بھی ذكرى یں اورشرک اور رک کل مذ مت يل آ کم سو ے زا مقامات 
یق رآ نکر مس شر ککالفط استھا ل کیا اورا ی کے برےاشرات سے کم دي >- 

اد یٹ مقدسہ نے شك سے :یت کی زک کی کی سے۔عبد اق این مسعودکی ایک روايت 
یس س ےک ایی حضو ر اکر مسل الم سے لوھ لالد کے ہا لو گنا سب سے با ے؟ 
حضو اكرم ذف رماي دسب ست كناه ہے س کر اس رب کے اتش ری بنا سے ما لاہ ای نے 
کے پیر کیا ہے۔ ایک اورمد یت مضو ری اي یلم نے ج کی كنمو كاذ كرف راي و سب سے 
پیل آپ نے شر ککاذک کیا ایک اورحد یت ب نآ پ مکی اللدعلير وم نے فر ای کرات “ہکات سے که 
درا آي نے فرصت شک کا رکیا۔ 

رت معا کوتضو رام ی علیہ لم نے لباک ومست فر ال »الل ييل کی بات 
کال سكسا مج اشر کیک رادار جاريم نل کے ایا لاد ماو 

ان احکابات کے معلوم مر کے بحر ہرس لان دوزن 7 س > كاوه بروفت رک ے 
:سی دک رتش کے ر بل .ار یل عل ی اورشر گکا شرآ جا شرك کےخوف ےا رک لک رک 
کناچا ج ےکہمباداشرک میں نہ یڑ جا او راک مک یکی طرف جا جس مم شر کشا نو 

ایک عدیت می حضو ر اکر سبل علی للم نے فر مایا کہ جب کک تاب کیل پڑت اتی ات 
بندو ںکی فرت فر ست ہیں :مھا نے عرض لک یاک سول ایشا بكيا جز ے؟ آپ نے فر ایا کاب 
یک شرک باس ایک اوعد یٹ می تضو اکر صلی اث علیہ وم نے رماي ل جوآدی ال 
حال شع رجا تکاس ا کات ىكوشريك کی ہوا اٹ تیا ا كيفش ےگا گر حراس سنا 
يباو لك ماش مول - ( موو س ۳۰۷) ۱ 

شر ریف درا كانمي 


ام راغب اصفها ل شر کک تق ريف ال طر کی ے! 


ی فطبات or‏ شرک ای کین تع > 


"یٹ ھجت 1۳ ھت جسھد ‏ وجے ‏ صد .سس ہو ہہ ہے۔--ے۔۔- 


زک الانْسَانٍ ھی الدَيْنِ ضربان اَخَنهُما الک الاغظم ولبات 
شریک لله تمالی وذالک اغظم کفر وَالثانی آلشرک الصغير رَمُوَمُراعاث یره 
فی بَعْض الأْمُوْرٍ وَهُو اليا م وَالنََاقُ (مفراداتالتران) 

دين اعلام یں شر كك د مل ہیں اس میس سيل شرك ام ے اوروه ار تا کے 
اتی لی او ركوشريك بنانا سے جو اکر ے دوس رک انم شرك اصفر سے .اوروه خی ار روانش اعمال اور 
عبادات مم لوط رکھنا سے جودرقیقت ریا كار اورنفاقی سے ۔ا یآ ری کی وضاح ت آپ اس طرح 
مرکو رفس بها لمج سک یں _ (1) تل الز ات جرک انات ( ٣‏ )شيك 
ل امل یکم شر ک الا تكامطلب ىہ ےکی کس اشرک ذات کے مقا سك میس باتک 
رسال اورثرب عاص٥‏ ل کر نے سی زا کو لاک ڑا دتاے وراش کا بے او رتور 1 ال 
کو لو جاور ییا لگرت سک ریش رل یکا سے وطق اش پیا رکی ے میل ا کی عیادت رولك 
اوو تی خو بوک الث كسان مرك بر بات باس كل » جنائي بتال کے پیاری بجی عقیرہ کح 
ہیں او راک کت وه ركول یا سے خیال ل پا ذدات که بتاک ب جایا ٹک تے ثيل - 

رتور علیہ السلام حل وت بت پرستو ںکاشرک اک وی تکا نا ج وآ رع تك جارى ے٠‏ 
ال ونت ہندوقو مت سکروڑ د لونم ول لو گنی » يبود ونصالاى ال عون شرك عل ببتزا ہو گے 
ہیں اور اک ڑ خی رسلم اتوم مق او موبراورشموں کے اس شرک مس بتلا نيل - بك تور ےق س 
الام کے كو یراروں میں گی اک ام اعاصہ طبقہ دا وگ سے جواپے بذ ركول اورتو ی یژروںی 
شویول کے ساح کد ے 2-6 20 ب رواش با رست اور توم يرست لوگوں کے 
إل ا اک میا جا پاٹ آ پآ ان سے دک ہیں ءاسی دج ےش لدت مطهره # توم ورام را 
»وال داس ےر کآ یا بھی ےاورآ بھی سکم ہے۔ وب 9 

دين اص میس الى تك بت يق ال کل 
ان لے قور جانان تم وال نس 

دوس مشرک الصفا تک مطلب یک یکپ ارت کی صفاست لاز كلى غير 
شل ماتا سے مشلا صفرى م خیب ,صف خالقیت ومالکیت »راتت اور صف لد رت صف تحرف 
داستخا نت ماقو ل الاسباب نیم ایند کے كغاب ككرتا ے۔ 


ھی خطبات و کا نے 

۱ شر کک اگ اعم می لم وو خی رسلم بہت نسار ىلوق بتلا نيل - لوگ خی راد ا با عبات 

یش کار ے ہیں او رک رت کے اکٹ ضرفا ت بی اتی سكسا نی راکش کیک مات ہیں۔ 

تیر یت شر کن امل ک مطلب یہ ےکیٹ شل چا لکرتا جن ده الك لوا 
تال کے اتر یتو نکورکھان بھی چا بتا ے دہ جہاں ضرا کی خوشنو ری ما لک نا چا بتا ج و ہیں خد ا کے 
کی تد ےکوی خو کہا ا تا سے کول ديات یا دکیا جا تا ہے ۔ بی اک رك اگرایمان یس ہولووہ 
ایبان اواج اراک دوس ےل ش ہو ووگل بے فاده ہوگردہ جا تسج اورک کر نے 
ولا رم نا »اكوب ہی رسک کے رک میس رلوک کر کح ہیں جا من سرک دون 
رکب ادسج ل ے۔ ۱ 

ا مکاشرک ال الام شی ذیادہپایا جا تا ےکیونہبرایمان کے اد یاهآ ے ایک مد مث 
شس ے! ”من صلی یرانی فقد اشرک ومن صام یرائی فقداشرک ومن تصدق یرائی 
فقداظر ک “ جس نے دکھادے کے غاز گی اس نے شر کفکیااوجنس نے دعاو ے او رر یا کاری 
کے لیے روز هرک ال سکیا اور هل نے دکھادے کے صرت دیا ال نے تر ککیا۔ 

برعا ل سم فول لزع کان توم شرك سے اسن آ پکوہیا يل » اللہ جرک 


ماق تفر ماۓے۔ 
شر کک ابا مول ؟ 

رآ نکر می اللہ تیال نے قم فار کاایک وت نام کیا هک دو لوگ ایک دوصرے 
کو بوت سوت اورئل الموت متام > راتا ل‌طرن مد 22" وَفَالْوْلَاتَدَرْنٌ الهَتَكُم 
ولاتدرن ودا ژلاسواغا ولایغزت وََقوْق وَنَسُرّا“(موره لورع)' 

من بول کا کے متبورو لون موز و صواو د اورسوا عاوریخوث‌اوریعوق 
اور نس رگ ملز جوز و_ 

حر تآ دم علیہ السلا م ےلیگ حمر ت ادرٹیس علیہ اسلا متك ا كر ارش رکف اورشر کا و جور 
ی شتا رت ادر کل عليه السام ادلاد لپ بنرك بہت کیک اور صا تھے بكوام النا کی ان 
مایت وا ہانرحب ت گی »رن کے سا تو لکرعبادت خداوندکی می و ىكل کے اتی شخول ر سے 
تھے یہ بدك جب کے بعد دیرب ال دنا سے رصت ہو گے ہلان کے پردکارول او رعقیرت 


على خطبات سم ل ۵۵ رک ای کین جرم ے 
رون خی لك ار يال يلل ادرو سار سے ابو کراب میات عل ووم ل رم 
جو پل ان بز ركو ںکی مو جودگی میس ہوا تھا اک را یکوائٹٹس نے ديكا توه ایک صا او ری کآ وی وی 
سےصورت می ںآ کر ا نكا مدرد بنا اد ہچ رک ایم كبول ب يشان و؟افبول سس هگا ہما رے بر اب 
يار درمیا نگل ر ےا ل لك تسيل عباوت ٹیس مززوتيل] ج| لوجت مي لشان ہیں شيطان ده 
پاک ان ب ركو لكل صورتڑں پران کے تش تہارے لے پنادوڑگا جب عباد تکرو گے توان 
شمو كوك میں پاک رگا کرو 

جانا ٹیس نے ان بد رکو كل شون ےکی نح ہیا کرا ن لوگو کو سے جب ال طية کے ادگ 
مرت شیطان نے ا نکی اولاد کیا کتار ب ےتا ن مو نولو چ ھے بی لپ كرون 
رركت تك چنا ٹیر نل اب بمو ںکو پچ جنل ال کی عبات موقو ف ول اور نارگ عیا رت 
شرورع کت یر عقيره أ کی ارش ککیاعلی شرو موی _ 

نض روایات سز رفصل ے بیدا ترنتول سے كرون شش جبلوگوں نے بح رک 
ان و ںکوقص كيال خيطان کہ اکان شعو کواگ سچر کے ورواز ول کے پاش رکو سل 21 
جاتے ا نک زیارت موك ادت نیل مز یز ہآ ےکا چا جب ایگ عر تك سور سے 
دروازول سك بای دب وشیطان نے م کک اک گر کے مر کے ارفا بو 1 گے ہوں 
نو عپارت سل زياده اط فآ ےک بچ ہو اد کے لے ہوگا عاو ت کی اشک کی ہوگی ین عبادت کے 
ووران پزرگوں کے ان مول برنكاه يذل ر گی توخو بڑ ےک جناي ول نے ان موں 
آهفون ے٦‏ لصب كرديا- 

جب يلوك دنا سے عل گے اورف جوا لآ شیطان ےآ اک ران ےک اکم تم سول 
ل پڑے ہو؟ مار ب ےتا مویکو جن ت ای لئ نمس میں از کے وقت سا من رھت 
»چات داس نے اب ان مو كوبت با ا اداترو کی ای طر مل شر کک ال رو موكيا 
ای بل نظام وراد ری اور بطل تا رنه کے لے ال تاذ وج علیہ السلا مکورسول 
بن الرسبتو مش ف ماااورآپ نے ساڑ ع نوسوسا کک اپ هرهس زیاده ایآ دی لدان 
تو ال 7 رک کےا سںمقید مو روز | 2 علیہ السلا مكو راجيا و آپ ے برا 11 
سک وع سے لور ىك پر رقاب موی - 


على خطبات ۵۱ رک ایک مین 30 
تالعداروں ےہا تاگ "و لاتسفذرن "ور جوز نا نیک لوگو نك صو رو نکی عار تك رن 02726 
ال تا یکی خاض يل ان لوکو کی دلول وا مول ے ءاووراس ل نے ان کے ولو ںکواپنا ی اور 
جا نطبو رايا سے اود اس گی کا ان کے کاہرادد ان تلایا ے ال سیب سے ان کی 
تو یں گر چم ذخو د پر اٹل ویر ہے نال ینان ان سگ وی جا شي ريال جال سب اور 
توم بھی معبوداورودہو ن ےکی لیا قت رت ہیں دسو رز دوز نوس وا “ووج وا تی 
کت ذ اکا مہ رج اور وک تبت سار سا لمكا مظبراورميرًاوواصل د 

قم ف نے ا رواک مردکی فصو ٹر ارد تیا یوک عالم انال کے اکل مب را تور 
یں مركا بك امتا م سچ» ال مرو عند ولو کر کے نام سے یادکرتے ہیں۔ ”و لاسو اعا اور 
بجو ڑ وان مظا بر وتصو ماسو اع وجوثيات او راتفر اراور بت ایک بر ہے اور عا م کے بقاءكا سیب 
ےش ریعت یل الس صف تک "قیوم “کے ولو ماو نے ا صور تلور یک تکل میس بنا یا تھا كل 
كرك امام اورا بی کل اورخاتدا نکاشوت وتنا مات سسب سے ٢وا‏ ہےہ ہندوں کے پل اتر 
کو ”بر“ کے بل - ۱ 

و لایغوث “ اور پر ان مظا پرکونبچھوڑ ناقصوصا ”یغ وٹ “ک ویو فریادری اورمشك كشال 
تن تدا یکاش ری ہے٠‏ شریعت مل الصف تكو”غيا ث المستغیشین "اور ”مجیب دعوة 
المضطرين “ كت ولد وت پکار ہرمیبت دوك ب ردک کے وال مو کے اس عت وکو ےکی 
ل میں ایا ارگ جافورل می ںگھوڑ ادوڑنے اورپردگر سد میں سب سے طا ر چاو ر ے بترژون 
کے بال ال مانام اند سد 

"ويعوق “او یتو یکو نیو ناجوجمای کر نے او رت ووركر ےکا متم ہے ہش ريدت 
ساس ضف تکانام "دافسع اسلا ء ۲ قوم فار کے ہاں اس تلب رک كل شيرق شرف 
یقاس اد اي غالب سكول چان رال کاب )»دول کے اں ہس ظبر 
کم شید ے۔ 

"ونسرا" اضر رز دوز نا قوت الک ہے :نس رکد لو اكت زهي پرندواڑنے 
والے پرندوں مل بذك لوت والا رده سب ادا ان ٹل سب سے یزار ی ہے موم اک 


ال خطرات - 090202-000 0 2 2 a‏ ام ے 
مناسبت سح کوک وھک كل جل با تھا ش رت باتک قسوت غيبيسه“س» 
اور ندل کے بال ا کو ہو مان کانامدیاجاتا > سطوفان فوع دلب با کول بت قاب ہو کم زین 
کے دب گے »یر شیطان حون نے ا کا را لكر جز ےہ عرب لب دوا رہ فرام 
کرد یئ اک طرں بي بت بتان م ھل ہو گے »الک صمل انشاء ار ره جم رآ جا ےی _ا 
ال موضورع کے تلق چند ایا تاع ترا س - 

چایتا: 
وع كىن سکتابوں بس مق اسا ےک ايك دف رت موی عليه السلا کاک رایک عابر زابر 
خض ير ہوا جو ياد الى سشفول تھا يان ارگ وجہ سے ال نم شکب باس اور وه 
یڑ سل ال کے مکوکھار سے تے :ضرت موی علي السلام نے ماک اس مصحیب کی عالت 
ل اون تھال یک کون کی نھ چ شک سل اداکرے ہو؟ دہ تكن ےک اس یھاری او رگ ول ےکا شن 
کان راداکرتا ہو ںک ہا لک وچ سے فآ نیل تو اس لے عباد کا خو ب موق ل جا جا سے ۔ححخرت 
موی علیہ السلام نے قربا کا ونت دل می كول ار مان ارتا ی رسكت ہو؟ اس نےکہاہاں ایک موی 
گیا لاتا تلآ رز ووا ہے دوم نحش پان ی کی خاش سے نضرت موی" نے فرما کہ دونوں پا س 
پوری ہیں یش موی ول او را شا بای لا اہول يكرك رترت موی" انی لے کے لے ےجب 
ایلع تو وکیا کہ عاب کا اتال ہو کا ہے اور ردول نے الل کے سح مکونو فو كرش م كردا سے 
موی علیہ السلام نے اللہ تھا یٰ سے ا گی وج معلو مک یک اين عباد ت مگ ار بترول کے سات ہے 
حشرکیوں؟ت اللہ تالى نے فر ما كرا موی ال كول با رسو سال كلا يلار ہاتھا اور ہہ نك ياد 
کرت تھا رج اس نے ٹر یاک اور سے طل بکر کار كاي تک :اور ہرک ور کے ے 
وج اکر میرے خی رکی طرف تو ہکی ے :یس میں شر کک بو سے جو نك يندئال نوي دن میں ا یکی 
مزاب 
لوٹ: 
تبون پا راو الى کے سا تجح اتال یکا ایک الل معاملہہوتا سے ورن عا مآ دی کے لے اس 
ماع کی لول جزل »ب مرال بات دا کرک نک بلا >- 


سے 
0 


على خطبات ۵۸ شرک ای کین بمب 
کا 

وع اک کون ماس كرايك الثدوا سك نے ایک دفص دود بی لیا سک وجہ سے اس کے 
پیٹ کت درداٹھا کی عیاد تک نے وانے نے وج دد یاف تک کہ در كيال ہوا ؟ لوال نے جواب 
نر ہا کےا تکودودھ بها تھا ای سے درومواء جب ا لكا تقال ہوا و الد تی نے ان سے اعمال کے 
تلق سوا ل کیا ویر صاحب جوا ب بن سک کہ یا رسب ب وکا يان هل نے شر کم کیا سا 
نقالى قربا لوه دود م وای رات بول کے :شی رور کی طرف ينبس تکرناکرال ے درو موا جب 
کرد ردلا ولا لحاس دي رقصر ا ستند ھیک ,مت مر کرت کے ےکن 
س ےکرک سے بے > ےلوٹ کرک ا ارو کی بات كرحا سے - 

تخل ہر شرکیات سے مار طاطت فرا-4- ین 


نو کا كش دنا س كول فن تم ہو 
کل جس قم کو پہواے من تم ہو 
بملیاں جس میس ہیں آسوده و خن مم ہو 
83 کھاتے ہیں ج اسلاف کے نیشن ثم ہو 


ہو یکو نام جھ تروں ى ارت کر ے 
كياد تدس جد مل بال مم يقر ے 


که دم سے بل کو مایا كن نے 
وع انان کو ابی سے باس نے 
مر سی ےک جبیوں سے باس نے 
مرب ثرآن کو ے سے گا یکس نے 


اء وه ارت 1 مکی ہو؟ 
ہاتھ 4 ہاتھ در ے خنظر فروا ہو 


ا اھ ی 
واعظ توم کی وه بيخت خيال ات ۱ 
رق فی د ری شعل مقال ند ری 
ی ابم اذا نو بل ری 
لز ره کي ین غزال ند ری 
مسر مش خوال یک نمازی د رد 
سن وه صاحب اوصاف ای د اچ 
آل وعر بيث 
من رک بالهقد افتری ماعَط 4 
وَقَالَ عليه السام الااتبئكم باکر الکبانرقال آلاشزاک بالله ثم قرا اومن 
ید بش رک بالل قد افتری معط (مجمع الزواند ج ص۳۵ ) 
تفرگ بل (مجمع الزواند ج اص۱۳۱) 
ناه لان يع مهن عمل :ال رک بالله ور ای زالفراژین اف . 
(مجمع الزوائد ج | ص‌ا۱۳) 


عل خطات 4۰ م عب می رک کےا 
ب ہے ےك جج کے اس وین 


ہت - --- ۔_۔ - 


ب كس از اع ۳۰ بو 99۵ ین جا مع سهد اس رو ةكرايى 


موضوع 
يع ب لك کی ےآیا 
مار ارم 

(وَفَالوْالانَدرْن هکم وَلَاتَذَرْنَ وَذاوَلَاسُوَاعَاوَلَایعُوت وَيَعُوْقْ ونسرا رذ 
لو اكير ول دالطَالميْن إل الا (سورةنوح) 
فم كان یر جواقَاءره یل عملاصَالخاژلاش رک يبا ويه أَحَد4 سرهف ) 

كترم حاض رين ! 

کشت جم ہآپ سكسا حشر كك ابتذاء ارك ای کین جرم ہے انان سے میس نے 
بج کیا تھا ا بآ پ کے ساتے مہ بات دا کنا چاجتا ہو لک نشرک جو ایک چا ہن جرم اور بت ین 
نابز یه رب می کی ےآیا؟ جس کے ات کے لئ میں پاد ےت ران انز اور کے متا لے 
کے سك بی اغرال ما نآ ؛جنپوں نے میس سال تک ب می٤‏ عرب کے رک کے سا تج مقاب لكياء 
۳سا م کرم ميل اوردل سا لكك یور م كفار کے سا ونر دز مار ہے :خر جع عرب 
شر کک ا کی ے اک ہوا یکر شیطا نکی ال سے بای اک قا م تک کول لان ج ره 
۶ب ل دوباروبت پر کرے۔ 

ابوالمنذربن هشام نے ناب الا عنام مهاب :لک خلا مہ ہے کاس کیل علي السلام 
گی ادلاد ج بكرت ےک کر مرش ان کے لے رز نک نگ يرك اس لے ا جوز 
کت بو اورروزی کی تالاش ل اوھ دہ نشم ہونا پا ء ولو حفضرت اب تیم علیہ السلا م و 
رت ا ال علیہ السلام کے ولول ٹیل میت رک بت وجو لز رات جہا ی ره 
نمال نے پطور یادگاراد و رک نا کم اورم پک کول دا را سا تد کر ےلیا کہ 
بوتت عبادت ساس ہو اورک کا خرن دزوقی پرا ہو باس نل نے ان پر ںکااپنے ہا ں طوا ف کی 
شرو كياادد بح دک مولس اک ما تاودا اش يرو كوج 2 

چنا نبول نے ريت جوا كوا چا الا لوراك عبادت شورع گی ءاوراس طط رب با تاعده 
تبوطر اول كيل بھی 7 عرب می ترک کا روان شرو 


ظا ا باب مگ یا 
ڑکیا جا ہم سا يهاب بك شرک عام یس دادرم اک مین بھی تک شرو کش ہواتھا 
جو مور پاتا مکی مت پاہر سكعلا لوال ٹیس چن رل کوک مد ودتھا- 

رمث شر کک ابتاء! 

2 ل نے دين می کور می بدل ڈ الا رک رمد شل درک ال لکانام 
تمر وت ن اک توا کس بی ےر ا ہکا سردارتھاء او رکا ہن کی اء جب سے بر مرکا متو کی نال وتک 
سے انہوں یرم بت بتک یادڈلی قصہ لال ہواکہ ين خود ار يا کی نے ان سے 
کاک تام شام ایک چشمہ ہے اک رآپ وبال باک رای پا ےس لكر سیف ہو جا کے ره 
نی نے شا کاسفرکیااوراس تشه يرج كراش سے ویک موكيا يان اس نے دبال کے 
لوک ںکوویکھاک دو تلو جے ہیں ری کی نے چم کیزوم پچ موہ لول سكب 
ہارے معبود ہیں تم ان سے باش باعل ہیں اوددوصركا اج ما کے ہیں بحر وہ گی کی اکان 
تاک بت ئسی لک د یردان ول نے ایک بت انگود یړ اکان مکل تھاء جو وم علیہ السلام 
کےشبیر نے پا لکی تو ےک بج فا نض جب وای ںک رآ سف ن ايخ ساتحدشر اتکی بلاد 
توح رک طرف اٹاک ےآ یاو کج کول اکر ای نے خاک لص بکردیا ہجار انا تیت اوروتود 
کات يد يبل بت تھا جوخانکعہریش کر کی تھا ۔ چک یشک نت تا لے انان 
کے خیطان نے بادا کہ اب نم جا ادرهده یس فلاں نانے میں يارج بت تياد پڑے ہیں ا یکواٹ یکر 
یہاں اكع لآ 6+ روا کی عباد تك طرف دلوت دے دو او ری ےڈ روص کوک رب 
ییالال گے۔ 

عمروب نگ یب سے چدہ اورت نےکوکھوورقو و کے دہ پا بت ود ءسواع » یغوت» 
يعوقءنسرء کو رکال جوطوفا ن فرح اوراس کے بد کے عاوغا تک وعہ سے ز عن ثوب کے 
.نا رع بو لكو نکر اس كنض نے نا دک عط کردا اور جب ‏ کا مو مآيا اودلو بکرم 
ل ہو قراس نے عام اعلاان كيان بت كك عباد رون باك ل يدل ساورب القه 
گی رضت کے مظاہر میں ,لوول نے رف رفت بولک پا جانشرو ع گردکا ورس میس ت تی مول کی 
انلم کےا ولف چرو ں لر چ كاورش کاپ ارم ہوا۔ 


على ذطرات ۷۳ مي عب لك ليسا ا 
ے ے aa‏ عم سد ا 


- ہے ی سس TE‏ 


شرک کے بعد زر كرب لوف 

کک آ کے بع رجہ رب سا كلف یز و لويخ گے اور برشن يند چگ کی 
طرف شو کر کے پالوا۔طہ پالغی روا یل متبود ہن اکر اکی عباد کر نے گے گر جر جندافرادا کی تالت 
بھ یکر ے ر ہے ليان ا نکی حثيت دوه کے باب« چنا چ عا طبقات ہے ے۔ 

ا ضضاءموصر تن ! 

لاگ اس دود ہت يق نلك نو حیدادرملتت ابرا کی پرقائم ےج م بہ تك :يلال 
اولادوار بنات عام بدعات اور بت 1 ےکر تفر بے اور ہت ۳1 یود إن اس زا کے 
مشک كنت ڈانٹ پلا ست ادرا نكو سل بات تے اورا نکی بت کا نا اڈ اے تے۔ 

چنا نج ضفاءم ود بن کے بور چنداشفائ کے نام مہ ہیں 

(۱)شس بن ساعدہ(۴)زیدب نعمردب فضي (۳)ورقہ بن فل (۴)ز ہی رین ا یکی (۵ )عبر مناف 
(١)نی(ع)‏ شم(۸)امے من الى اصلت (9) كعب بن لوئی(١۱)‏ خالرين تان (١1)الورل‏ الا 


و ۱ 
بل دنا موحد ین میس سح الورل اللا ےگا وی ست مض کی کا یط رح اننا سج 5 
لا درد رجل خب يهم 
يَسْتَمُطِرْْنَ لذی ازات بالغشر 
ان لوو ں کال ےت اورا نک یی ناكام مول جرختل ای لكشرنا ى لود سے کے ذد لے سے باش 
طل بک 2ج - 


اجس اعل آنست ب وزرا ملع 
رْغَا لک بسن لے وع 
کیا انفد اور ہاش کے درمیان ال مکی ن گا ۓکووسیلہ بنا تا ہے تک دم کے ساتح سم نی بود ےک 
نیال بنری مول ہیں۔ 
گے کے پپجاریو ںکادستورتھاکہ جب بابل ند ہوچانی تو ےکی سين کا کوچ کشر ا 
ھا پا کاگھناہ اک رات ےکی دم کے ساتھ باد لمت تھے راس میس گار ے تے جب کا ےج 


می خطبات ےً۔ as‏ ده رب میں شك کهآ با 
درک چائ ا رن لک خلت یر يفك وج ے الله ہاش 
پرا ےگا۔ 

ایک اور“وعدگمرد ان زيديل سف بت ينتقي كفاركوا ل طرح ذانث پل - 


اتل-لااوَّجِ د م الَف زب 


اون اتسنہ تست اف ور 
جب ع بادا تیم ہو نے لک جا یق کیا ٹش ایک دبك اطع تكرول جرا بابک اطا عت 
گروں؟ 
تر گے الات الم ڑیج+غجیف 
سالک یف هل الس رل مير 
شل ےو لات متا 3 اورعڑ ى س بکوکیھوڑ دیاءاو نعل مت رآ وی ایبا یکرتاسع- 
خفاء لل سے ایک اور مود نے مش كي نكو ہمت یبال وقت طعن دیا جب ایک لوم ی نے 
آ کرت سم پیش ب کرد یا اک ےہا 
را يول اسان بر بے 
2 .تی 
كياملا كورب بلس کے رم لوص يال چشابگرل راق ہیں » یقن وہ يذ اسل موا تمل کے او یر 
وم لول نے شا بکیا۔ 
ایک دوسرے مود نے اسلا مقو لك نے کے بع را ہناۓ وس ب توق لک رجلاد یا او ررس 
کر اھا ے 
ناکین لس بسن اوكا 
انسی حشرّث السناز فى فسوادکا 
از بان بت لت اند مول :کرک رپ لش سے مرک پیش يه رل کے مس نے 
یا > بے ئن کفآ ]لسن ےید لآ كبردق ہے۔ 
دن وخ لآ نے کے بعر ایی اور دهد نے ب کہ اکا سط رح اظھارکیا ن 


على خطات ٣‏ 7+ ب میں شر ککیےآیا 


ناقری لے اتک نانک 
الله قد آممانک 


انسی رات 
از لآ عل تی ری پاکی میا ناکرا بأل نل تير نكا ركرتامول شی نے اپ ر بکود ها كرا نے 
کے زی لکر کے رکید )- 
ایک او ر اران موعد نے اپنے ناس توت ب تاو س ےک ےکر کے ایی قو م یں اس طرح 
عاماطا نکیا ے 
کرت باج را الا زک ان لنسا 
زب ضرف به طلا لال 
اراك بلفن مروا ضوتف 
الى من قال ری بجر قالی 
نے باج ب تک ےک ےکر دیا ج جما را رب بنا ہواتھا جن لک گرا یکیوجہ سے طوا فک اکر ے 
:ا علا ل ساف کی کرو س ےکی وک اہن كان مول ترا کاراب 
۳ ودولصاز ی! 

7 اب میس ہودونصا ری کی موچور كت »ر لوأك اکر چ اب لاب تھے اور بت ,۳ 
عو ٹنیس تھ يان چوکلہانہوں نے اپنے اپنے دی نکو را ڈکررکعدیا تھا طررع ط رح کف كر الى 
تيل د چنا يه یہو وخر ت۶ز عليه السا ونیا ارد سے تھے ادرا نکی صورت او یجس بن اک رعباوت 
کول میں رکھ اکر ے خ ای طرن ضلا ی كا ال تا کح ی مکی اور جرت هریم را الام 
کوالوبیت بی شش یک کے تے اوران ل نار باکر سے تھے۔ 

-سارویست! 

رب علض ذرتے سارہ رست تھے »بقل سیر سارہ نس ت f ic‏ 
مرک رع عطاردہ زل کول چ تے ‏ اس کے لے انہوں نے ستاروں اور برجو ںکی لیر و عبر 
ہیں الى ل جن مل ا نکی ونان کے لے ان کے بال نما عباوتیں اواج مقر 
یں 

چا ادر ل کے ال شعر یکوچ ہے حت ج کی تد يرك نکر ن ےک 


دییات اش اشاس شه ے۔ ب میں شر ک يا 
E‏ انه هورب الشعری شر سار ےب اپ ار ین وود 
كلو نك لو جنا رون كرديا؟ 
r‏ اب متا ب پر ست! 
ہا لیت ال ما پا نداد ورگ لو جے تھے او رآ مان کے للف برجو لواو جے ے 
شل طرف الآ یت شس اشار ولي گیا ے! 
وِلاتَسْجُدُوًا ِلسّمْسٍ ولا للَْمرواسجدوا له اذی خلفهن4(سرءنصاتآ یت ع۳) 
”نی سور ونان کے بلہاس را که توص نے ا نکو پی ایا سے“ 
۵۔ جنات اور اتل رست! 
جنات اور الہ خاش نرب او راب کمک تید وق اك :نمو بارش خد اتا ی ل جنات 
کےسردارو لکی میڈیوں سے شاد ىك ل ےن کن عفر شت يداو ہیں جوف اکی تیال ہیں - 
بز ہ فرشتو ںکو بش کے باو و خو ہوک اتال سے مار فا کر يل »وریپ بھی ٹ یکی 
بات رڈ كرتا سج اس طرح جماراكام بن ایا کیک ۔ اسطررح مش ركان جنا گرگ پچ مهس 
كا سور تنعل 
رآ نكم یش ا لقید وال طط رح دک یاگیا۔ 
فَاسْتَفيهِمالرنک لات وهم الونَہ اَم لاله رهم شْهدُوْنَ ہ 
انم ن الكو رنه لا ی لو ہ اضطفی نا على یه 
مالکم کیف تَحَكُمُوْنَه اقلا ند کرژن 0 کم لطن من فان بكم إن کم 
صبقتن ہ جوا ین وبين َة نب فد لمت اج انهم 2 لمخضروژن هسب 
الله عَمَايَصِفْرنَم 
سورخ صافا بت یت ۱۳۹ آ یت ۱۵۹کت جرلا حظكر يل - 
“اران او ےک کیا ترس پر وددگار سك کیان ہیں ٠١‏ كنف حت )اوران 
.و کے لے لڑ کے؟ یا ہم نے ان سك ساح فرشتو ںکوم ت پیا کیا سے خو بن لیس لوأف تال 


- 


ج 


پال ہیں او توت بت ع لك اللہ تال صاحب اولاد ے کیا ندا نے ان بو ںکوت 3 
دی؟ »کت ںکیا وکیا كيدا نضا فکر تے ہوکیا تم تس ؟ ی کیا ہار ت سكولى کی دس ت“ 


میخض ٦٦‏ جر ب میں شر کک ےآ 
ل ات 


ے --۔۔- © - حسد ا ab‏ جح 155 ۰.1۳۳5 جح مر ہک ىع ےج ۳ 
س ۳۰ 3 


77 جو اتی وکس ورای شل ولا َء اور يق بای ۶ یب بات ےک انہوں نے اتتا 
اور جات کے درمیان رش مایا٤‏ عالاککہ جنات خوب جات لك وہ القد کے سا عاط رست 
ام »یمرگ خداکے جواوصاف جیا نکر ے ہیں ؛خدااس سے پاک ے' 5 

.کش رست! 

عرب لع و ہا نال میں ہج ں بھی آباد تھے یرآ کول ج ے :اور اں ”ان 
اور ی وت رہگ مات ابد ہے سے اکا ںکو جا جا نے تآ نی مکی مورة رج ک۲ تنم اسل اللہ 
تا نے ایر 3 کا فک رکیاے۔ 

ا َ اين وان هافر این والنطرى وَالْمَجْوْسُ وین اشر كوا 
إن ال فص هم ال إن الله علی كل شیم شهیده» 

ركد كل شور رت ! 

رک عرب کے عقیرے کے مطا ل و لوک بتو لكو بارگاہ الى میں مقر بكاذر له تت 
ای لے ووان بتو ںکی عباد تکیاکر ة كل بت يك لوكس کے کے کن 
كا خيال تھا کہ یم ا نکوخوش شک یی کے ہے ہمارے ر بكوتم سے را كراد يل کے ,يا تقر ب الى 
كاي ايك وسيل تھا کیو ان کا نی خیال تھا مایت ناياك »او رالش تال نها یهت پاک اور بلند 
١‏ بالا ےا م براه راست الد تھا كول فا کر هکل اا کے ہیں ۔ ای خرس کے ك انبول نے 
بز لول شكلوس پر بت تر اش لے »ان ند شور ہت ہے 2 - 

(۱) ود (۲) سواع (۳) یغوث (۲) یعوق (۵) نسر(٦)‏ لات (ے) منات 
(۸) عزی )٩(‏ اساف (۰ ۱ ) نانله را ۱) ضمار (۱۲) هبل (۱۳) ذوالخلصه 
(۱۲) ذوالکفین (۵ ) باجر (۱۷) دوار (>!) ذوالشری(۸ ۱) عائمه (۱۹) 
يسعر (۲۰) عمیانس (۲۱) سعیر 

شیطان جب انا نکوشرک می تاكرح ج يمر ا کات زی کر کے مو ڑا ےک 
کا ات می اشر ف اوقت سك رادل اوقت من جا جا ہے ؛اسی حوالہ سے مشرکین کے 
چ رل موز تھے بھی ملا عفر ا یں 
ات برا مت کین ۶ بک کا ای رشبل توحنيف كن کے علا د مامت آ با دتھا ان لوكو 


على ی خطبات ۳ جوزي عب میں شر کتکےآیا 


ہک الي ع عم عم ع عير ام سس ع 


نے ہج 2 حلو»' كا نيك بت بناركها تھا او رسب کرای ۳ بت لیا ار ست تے ‏ ايك طو يإ 


عر ےکک برلاگ اس ب تک عباد تک تے د گرا چا كك ال علا کے جس شیر سے السب نے 
کرای ب تكو عا میا ( كوي ا كما سيت بنا سے ہو ۓ خد اكوخووكما گے ) _ 
نا بی تک ر۲ ای قم کے مشا ايك قصہ میس یل بذ ھا سے کو رار مکل اتر ای کم کے 
سا نے ایک فی نے فرما كر هر بت نے بہت با فاده ھی تھا کا ران ہو ےک ی 
کپتا ے »نبول نے قصہ ستاب کے کے ایک دفعہسفر پر جا كا تفال موا تو عبات کے کے میس ذآ لے 

کا ایک بت بویا تلا کو لو تار با ایک دن جب می راکھا نام موكيا تو شل سف آ ہت ےآ ہت ا سے بنائے 4 
ہوۓ خداکوکھانا شرو غکردیاء يكل ی نے الى کے ما يا لا او رپچ میں نے جان يجا کے 
لئے پورے تیال رن نے نت تابن اماي رسب بش کے ۔ 
ر ک گرم می صفاادرعردہ پاژی سل ہے وومشجور بت اساف اورتا لہ ر تھے 
ہو الک قصہ لول ہوا تھا > کا اف ایک مردتھا اورنا مل ای ورگ دولول سه بیت التہ ے 
ار بل می زا کیا اٹہ نے دوفو ںکو كر کے یربا با ہق ل نے الولو جنا شرو عکردیا۔ 

(مستط رف رن سل ۵ع۱) 

کا ی تفع رہ: ہنرو کے با هادي تفر میں دکھ اک یک خاک بای جال 
ے اورا یکی لوجاك انی سے ؟آلہ تال يردودع دق ذا لکرجوان بوذ مرداو گور ا سكل 
زیارت اورعبلات کے لك 2-7 ہیں ءال کا تمہ لوں ہواتھا کہ مہا لسن زناكيا ل پردسرے 
تناكل نے ا کا زک کاٹ ديا اس مرسبباد ونارای اتود ات ول نے ا کارا یکر نے کے لے ال 

درل إجاياث جار ىكيا- ‏ ( کن البناه) 

برعا ل شرك ایک برك بلا سے ام س بکواس سسكفوظار سك 
آمين يا رب العلمين 

ین و ترب تارا بئروخان ادا 
کم ہیں ہم ون میں مادا جہاں جار 


صلی خطبات 24> مهب میں شك کی ایا 


سه ہے ہہ ردكت جس 


دنا کے ب تکدوں سوہ پا كم مد اکا 
كم الى کے بان میں وه اجان مارا 
يفول کے سا ل ب كرجوان is‏ 
۳ ہلال 1 ے وى نخال جارا 
مخربك وادیوں ل گوگی اذان مارگ 
تتا د کی سے حل روا جار 


53 سے دغ والے اب آسماں یں ہم 
سو باد لها تر اتان مرا 
عالار کارواں سے میور ایا 
ال ٣م‏ سے ے بال آرام جان مارا 
آن وعرييث 
[ قال عليه السام إن اول من سَيّبَ السّوَائْبَ وعبد الاصتام براع 
مرو بْنُ عار وَانَى ریت يَجرٌ معان فی الا (مجمع ج١‏ ص ۱۵۲) 
۲ )ول م غير دن راهم رون َي بن قمع یی خندق بو وا 
(مجمع جاص ۵۲ ۹ 


1 شاک ۔ 7 
ی خطبات 1۹ رل نے جترععا تر 


ار ار _ ار کڪ فى حت لتك يخ ص ہد 


1 1 ر‫ سس سس سس سس یی 
مش "لماج جلا وہ یما مع سهد رس رو کرای 


_ موصو 
سر ركان کے چترعتاتر 
الارن ارم 

بل من ررکم من السماءِ ولازض من یلک لمح ايضار وفن 
خر ای من الميْتِ ویخرج میت ین الح وَمَنْ یلار فسیفولزن الله قل 
قلاتقژن 4 (سورت يونس آیت 1”) 

”نان سے ل کے ہآ سانو ں اورز ٹن روز ىون ديا ے؟ یا كا نو لاور گھو كاءا ککون 

ہے اور ٹہ سے مردہ اورمردہ ست زد وکون کالما ے او رکا رخات عا مک نل يركو ن کرت ے؟ تو لوك بول 
یں کک ای تاک مک رتاے۔ لی فراع هک هرذ ر ےکس ہو؟' 
کرم ماضر ! 

ٹشآپ سكسا سن مش ركد ن عرب کے جندا عقا درکن ابا ہوں ء جوو ولوگ اور تلتق 
رھت تھے جس تک ی اندازه وجا يك کہ وو لوگ ار ےق ات جح عتا کہ رکفت کے پاوجود 
کرش رکتھر ےآ خر دوکون یچ یٛ می وج سے دولوگ با ركه الى يل مغوض دم ور ہائے اس 
من میس مسرا فو ںکو راحم صل ہوا ۓگ کہ تنک عتا مد کے پاو جو وار کی می تموی سا عقیدہ قلط 
آجا نے دہ ان تماما یھ متا مر ل کے رود جا ےلپ اپ رسلا نک وس یبھی ش رکیل سےا ےآپ 
بذک باب - 

ودک + كام سے کی رب او مو سكت ارو یکا مآ ع کل سلا نک یکر انان 
کے ب باد کابھی تو ی خطرہ ے اوک بت پک سے مش کین عرب بر بادہو گے اگ لآ نکی 
دول بتو لكوي جنا شرو )کر ين قدو كيوك جائى سے نع کے ہیں ؟ قآ نیمات اک رآ جع سے ڈیڑھ 
نا سال پیل کے لوکوں کے زو یتآ نكل بک قا متي ك آذ وال انانوں کے 
کی امیر یل تمش كد رب کے بجندعقا مدلا تفر الل - 

«1) بت يرست ار حرطو لو چ تاورا کے ك رع اورقر بايا لك ىكرت يان ا کے 


م كل + 


سے 


سی ور زا ےو جود تال شت( !)عام کے ماو اورف وا نے تھے( )مر نے کے بعد ای یکم 
تیاده کے و وگو قا کے( ۳) چام ناچا ما اورترام غال میں ایک جرت اقیازکر ے ے(۵ )ده 
عتيرور كت بی ےکا نک ال وما یک ایک الش کی زا ت سے وال روزی دی دالا ے اورو تی نتصان 
3 اک وی ادا ہے سب افقيارال کوش ہے اور کے سا ےکی وك ز بر مق کل یل 

1 سے( )انك قد تک یج ط ر کار اضعا هس ایو ادا يها كام اد 

س مس جوڑنو ڑاورتضر فك کان لك سے وی ال دانسا نو ںکی بی ہوں اورشنوا کا ہا لك ے اوروتك القد 
ےم ومر ڈیہ پھاکرنے ول ے چناج مور بال سوه شآ بت شل اک تر 
موجوو سے( )ر نک کا رکقیر ہن اک ہآ سول اور کنو لكاييرا اکر ۓ والا ایک الد ے اور ی ال 
یس ظا 1 ک اود نظ م تمر یکو ایک مر بوط انداز سے جلا سل دالا ایک اتکی زات ے چنا تی سور بوت - 
س تیر دا سط رم بیا نکیاگیاے ! 
وین ماع من خلق الموات وَألَارض وَمَکَر مس ومر رن الل 

( سورئه عنكبوت آیت ١‏ ") 
رآ پان سے پپچچیس سک مان درز نكس نے پی ای سورد نروس ےک کیت ضرور 

كبس ےک تال ے“ 

(۸) مش رین ربكا یکی تیه تالآ انول سے باش برساسة والاءاورجمرز شی نکوائسں سے 
زند هكس رک اكيت ,جل » يحول اوسر واگانے دالا ايك اشک ذات ے۔ چنا نرارشادے 
وین سا هم من نَل ِن السمَاء َء فیا رص مِن, بعد موه لین الله 
(سورئه عنکبوت )٦۳‏ 

تن أب ان سے له بی سک ہآ مان سے إلى ا رکز می نکوا یکی موت کے بع ری نے زئدوكيا؟ و 

شرو ريل حلاش ل“ 

۱ مالک رپ ال جد یددور ےکی سانش وان سے پل أو باش بر سے کے ے تام 
را كا كيك ای ںای کان ميس اک ری أ كت يل پچھو لکک روک سور 
ا داد پٹ مکی نک کرو س مگ یکا نام لآ ےگا و جما ری سانش نت تال 
ود سے و سے با لك کے ہر پڑ هن وس لكوضداييزارق رابا ری سے ۔ 


هی خطبات .۰ اك مشرکین کے چندع مد 
(9) سرت نع کتک نو درکن لكان ايل انتمل ذات ے چنا نر مان الى ے 
ولي سا له مُنْ خلق السْموات والازض لقن حلفهن نیمه (سورءززف) 
"اپ ان سے لی سک آ سول اور سينو كس نے یکی ضرو ہیں ےک ایس غالب اورسب 
ھا نۓ ساپ 
(۱۰) مش رگ نكا قرو تی اکا نکی مانو لک نا اددرقام اناو لک فاا ايل ایک وات ے۔ 
جاخ رشاب !وین سالتهم من خلفهم لقن الله 4 (زژف) 
ارآ ان بكس يكيان وکین ےک اود ہی نے 
)۷ امت کین 7 بھی عقيد تھا اكرز شی نکی بادشامت اور ای ل مو جو رتام م زو ں کا ۳ ال 
زات ےارشاد ارک ے۔ 
لل لمن الازض وَمن فا ان کنم تعلمون سیون الله ل اقلا ند كرون (سيرةلبزمنون» 
پل اد حك كز مین اورا ىكل جز سکس کے قن یش ہیں اگ رجا تے چات وجل ہیں کے اللہ 
کے قیے میس ےبہد یج نع تكو یز 
(۱۴) مت کین عرب ی قیده ركت ےک عرش لی کا ما تک ایک ای ذات سے۔ چنا ارشاد ے! 
قل من رب السّمواتٍ اسب بارش العظیْم يفون لِه َل لا تون (سورةمدنون ) 
آ پکبد تكلا ںآ انو ںاور ےگ کار بکون ہے ؟ د جل ہیں كاله ے »کہ کے 
لكيام ةل ہو؟' 
(سا )مش كين عر ب کا کی عقیدہ تھا کہ ا لسکا ات مل برجن رک بادشامت اور کے باتھ 
شل »وه نت ها بت ے يناه ديجا اوراس کے غلا فكو یکو ينال د ےک ران الى سے 
قل من یه 7 نم نزن 
میفولژن بلهفل فانی تَسْحَرُوْنَ 224 (سوره مومنون) 
راد کہ برچزک بادشا یکس کے قت عل ےک دہ پناود تا ہے اوردہ ينال دا ار جا سے 
ب صلی ہیں كاش سے اف ماد حك ةل رکہاں سم جادہ یز جاما سے 


ھی خطبات OES‏ سار 

مر يمعزز بز ركو! 

ان مندرجہ بالا مت شر ہ عقا د کے عاو و مش کین عرب کے دوسرے اعمال اورعقا ترق ے 
جواک عدتک پر یره اور 2 چاچ اکال کے میدان یل رین عرب ریت اش کے قال 
اور سك کیک ےرہ یکر ے هر ادرگره يبل وه اترام پا تر عے تے اورطواف 
جھ یکر تے تے ہنا م طواف مس ہے برعت ایا دک گے ہوک رطوا فکیاکر ست تھے ء و ولوگ صفاوروه 
کےدرمیا نیب یکر تے تےء او ری عرف اورم زولف ی جات نا برق ری نے اہین لئ جند بدعات 
كس میسن ایل ورام ارکان کے قائل تے اوردہ ا رطم یھی پڑت - 
وَالْمْلَىَ لاشریک لک لاشریکا تک هوتَمکه وَمَمَلک “ 

لاسام تر ےق رمت کے ے روت مو جور مت کول ش یل ے فا ایک سےسووہ 

کی تیراہی اذ یی ا كا لك سے اورد ک کاما دل د 

عا یٹ مرف ل كم جب طواف کے ددرا رک لبم تھے تے اورت حي رکا علان 
کر ے تھا حضو ركم ل انشع لی کم اکر ے ے "ویلکم قد قد مس ہل اکت »وا کالب 
كك ملم تکہو۔ 

شرن عرب طہارت ےکی وال اور ابر ل جناب کی اکر تے ے اورحال ل 
علورلان کے يا لال جاتے تے :شاب يران س لت ابرا کی سكي بال ماند ہآ ار جھے۔ 

مش رین عرب ایک عدکک از پڑھاکرتے تھے اہ چرا کیاروا عام تا کان الہ 
کاو تھا اک طررع عرب شرگن کے بال ر جب کے شبن «ل روز و لک رواخ تھا ر جب کے علادہ 
152 ںار کی روزه رکش تھے ای طرب ان لوكس ے ال اکا ف کی ہو تھا اوران 
چرولی وه لوگ نز ری اس عرب ہا لک كار تھے ننس مس ایک نارح اسلام کے 
اصولوں وان تھا اتی سب غلط هکم قارع اورشادی ولیہ طلا مت بلع ترا صدقات 
فیافت او قصائس وا تک ان کے ہاں فى بخ روا تھ اکر چا کی امش وتان ان 


صر 
ت 


و لكا ایک عدتک ان کے ہاں و جو دتھا یبا نکی خ یو لك ایک رش نے چ كرد _ 


على فطبات وت مرن کے چندع تاد 


وولو سر رک کر ے؟ 

ابآ ئےاورد يك کان تھا مخ تيال کے باو جودو ہلاگ شر ککیو لبر اوران ۶ 
کے ات مات دی عادات اورسك دق کے صفا تکیوگ رآ ۓ ؟ غلا ص ہے ےک اق ارربو بیت کے 
او جود و ولوگ بتو ںکواس حك بو ہے ت ےک یتو لك عبادت سك ا نكانقصودارزرك عباوت او تقر بے 
لی تانشك نکا خیال تق كان بت لكوعبادت ای کے ے تم لیم کیا ے بش کا خیال 
کہم نے فرشتو لک صورت پران بتو كوبنايا ے اورفرشتو كا اش کے بال ارت الط رح اللہ 
تال م سے رای ہو جا ےک بض كا خیال تاک ہر یت غد اک طرف سے ایک شیطا ن ق رر ے۔ بل 
ونش بی کا اکر بتک عباد تکرتا ےلو خدا سک کم سے شیطان الكل حا تل بر یکر دا ےہ ورت دا 
ےم ےشیطان ا ریف بدا سب - 

مش کی نک خا ل تیک تم بل اس قد ر ابیت کل ہ ےک کم بلا وا سط اش تا یکی عیادت 
كدي کون اللہ تال کی بہت بذک شان سے دہ ایت تقرل عل ہے اورتم تہایت ندل اورکنرگ 
یاس یں رام 1۳ راست الک عيادت کے ای بال ہیں یلگ ان بتو لوطو رواسط عبادت 
لش ری ککرتے ل چنا رآ نس ان تام خالا تاوا کر یا نکر کے ری ہے 

طمانفبدهم لبون إلى الله 4 لی کچ (سورازمآیت۳) 

نی ہمان بت ںکواس لئ بو سج و لکرده خداسے مارا رب يذ هاد ی بتک الثدتقالى فصل 
کرد ان میں جس چرس وہ مزر نل ممت ما مرک لوک مب كبا کر 2 لك وح 
ال ودين ولك مث لكر کے ہم بڑے فمداسے نز ديك وجا یں کے اور وہ تم راکرس 
سے سکام بن ہا نبل کےا یکا واب ديا اکاك ير بورج يلون ےو حير لص می جو ذال 
دس ناوا للقن سے اختا فکرر ے ہوا کل سل تال لیر ف ے٦‏ کے چ ل کر ہو ہا ۓےگا۔ 

بہرحال ہرقف ندکواس بیان سے انداز و وکیا وكا لكفا دک كيو سرک بو ۓ ؟ بل صرف اللہ 
تک کے غیراللدکوواسطرادروسیلہ بن كرعبادت میں ش ریک راتو رن كولم مسلران ارگ 
پاد ت یکرت سے اور الہ کے سوا دورو لوا عبات ل ری رام فو ووی ای‌طرر رک 
سب ےکا یاو کل ہوسکت اک جس کقید ہک دجس تکفا رر بش رک بول رم بیس لے سك »اوراي ل سلمان 
ال سے بذ کر غلط اورخطر کک يده رکتا ے وه نت ل جا کا کا ف ركنم مأك جلا سے کی 


على خطبات 


١ 2‏ شرلان ےچ دقام 


وک نج کے ساپ زيل ےا اکل رال سے زیادوخط کش رتیه مان رکتاے 
وو بحت میں چا یکر ےکا او ركها سے کا تیب اور انا رکا فک رکھا سے کا تور اورغلا مان سے اط 
اُٹھا گا ءکیوں؟ صرف اس ل کہا کا نا مصسلمان ہے ا کا نا مكب الث اوركبرالرصن ست»اورو هافر 
سا كانام رام چنا بال عقیره دونو لكا ایک سے دوو ل كت کے مكب یں بل يكل وان 
مران شا یرم ح دوقد مآ سك سے بعلو رصون ارح كل کے مش كول کے عنقا دکوان كا 


اشعاری روق يل طاح ظ كر ی - 


دورجد يد هشن ای اشعا رکآ ين میں 


الله کے لے میس وعدت کے سواکیا سے 
لی سے تل ج یھ نے لیس کے مر سے 


ا الى رل تی عطا کاساتھ ہو 
جب پات کل ش مکل کشا کا متیر ہو 
(ضوه) 


ج للك ضا ےک تقض 
ما ے وه کار آم 
س دور ہوں م عو بر ال 
س لو مری پار ]9 
(عداك شی س٠ا‏ ۱۳) 


بو إن ے ہد 3 ا 
سه 3 دب ۳3 وال 
(ل2۳) 


ڪڪ ي ص تا تاد با د بام بد جس۱۰ 


کہ بی نام سے ہر مصیبت گی سے 
خائ کیا کم لوا گاه سب سے 
رو عام میں جوش و ے 
كرون ع کیا سے عام اسر 
کے ب یرک عالت ول كل ے 

( گے( 


کون رضًا متکل ے أدي 
جب می فل کشا ے 
(Fw)‏ 


اے برست أوعنان کک نكن زان 
و كلدت عل و اکت ری یرای 
(ررج۳ل۳۱) 


یام یم کن ) سول اش 
ندارم جز ف اس شه دارم بے لو ماواۓے 
ول توو ساز و سا انم ای ب سول اللہ 

)۵٥صج(‎ 


کار خویش تم ال 1 رسول ۴ 


حضو کرم صلی اللہ علیہ وم ے تاق ان اشعار کے بعد ات رضاغان صاحب نے يأ 
عبدالقادر جیلا یک تخلق اس طر کو برافغالى كل ! 


سارت اقطاب جا لكر ے للع كا طواف 
کی کر ے طواف در والا 2 


كول نہ قم مول فواین الى القام ہے 
1 د تاور »دک قار > با شرا 
(ي ۲ل۵) 


(ج ۱۶۲) 


یزار ٦ے‏ مركن کے بنرعقالر 

عرش آقات لش کہ تيرق ی پا 

ہنرو گور > غاطر پر سے فض نا 

م نے تيرق غا تاسيف ترل 

مم ٹس جو چا لب زور ے ابا تر 

نز میں گور می مزان ربل پ كل 

۳ ہے 7 ے راان معد 2 

)۱٭۰صض٢(‎ 

يندم قادر کا ى تادر ے کپرالقارر 
مر بان بھی ے ابي سے عبدالقادر 
ذئی تقرف بھی ہے دازون ارگ سے 
كار :2 6 مر کی > کرالقارر 
( ۱ ع 

11 باكر 3 ج رن 3 ۶ب 

رو میں حم عل ے ارت 


(تل) 
مما نام ے زاكر > بادے 
تیر جر کرے شل باوث 
(ج۷۲ضہ) 

ترك لت و فطریات سے > 


کہ قاد نام میں دنل سے ٴ 


3 ی 


كوت 
اص سے ات و ات ے مار 


کن اورس بکن کن اگل ے باوث 


(۴ع۹۳۲) 


هی خطبات 2 مشركان کے جنرعقا لد 
re‏ ا رج تشد 


ول کی مل ۓ ور طور ے 
وه ره وعط 1 ل > باوث 


رت ۱۶) 


كز مسأ ان ! 

ان اعا رکو ہار پارڈ عم ارف لكر كا ب اشعارق آل تظلیمات کے موان میں ا 
الف ؟ یرال باکت کے سب سے ب ےکا کلام ے۔ 

تالک شرك جل وش ری سے بها سے ر کے اور یں جع عقا تداينا هکل عطافر سے 
اورال ماستقا متعطافرا ے۔امین يارب العلمين 
زنر ا سکی ےلت کے يؤام مرت 
گر باہو ج ہجاۓ لعي قرو لكا طواف 
م ے پ لے نا ب تر جیا ںکامظر 


على خطمات ہے اا ترف ال کان ے 
۰ ليح _ ہے ہے رہ me E o‏ سسہش 


بمو ناص منز ٦ھ‏ ۴ رل ۵ ۱۹۹ ین ہج بر روڈ رای 
موضوع 
عہاد تصرف الت کا نب 
مم رک ارم 

وی ریک الا توا الايا ه وَبالْوَلَِيْنٍ إحسانا4 وَمَاحَلقْتُ الجن والانس 
الْليعبدُن4 ودنک حتى نیک ات4 لاک نب اک نت4 

عيادت ای تھا یکاذ ال تن ہے دہ خالل ہے ما نک سےءرازتی سے »کلام ےء بل ہے جات 
ہے مارتا ہے ,و وای نے بنیا ہے »ينو وال نے ی سے موا ل دہ چلا ما ے سحندروں 
كوه يباتاس> »بارشو لكووه بسا جا ہے بی رگی موت وا تکادہ ا لك »ای لئ عحبادت ا لكاذالى 
تق ہے۔اللدتھال یک وتات میس سس سل دی لم اورم رک سب هسب کی نی ط رع ارتا یکی 
عادت کے قا کی ہیں ہاو ری طور پراش کسی مرک شفو لبھی ول » ہند وق م ی يال قوس 
ال يا يبود لوگ ہوں سب کے سب کی نی طر قول فعا تال کی عبات یش مصروف ہیں ین 
ا نکی عبادات اورمسلمانو لك عبادت ل فرق صرف یہ كوه لول ال عبادت کے سا تج سا تج 
ادرو کی بھی خباد تك تے ہیں او رس لدان صرف ایک ال٣‏ کی عباد تک تے میں اک فر قوف مک ن ے 
ئے رامش "اک عبد “فر ایا سی ہم تيرك تو عباد تك تے ہیں بر لكا مركا تقاض تاک ی 
خبادت ط رآ ہو ”نسعبسد ایساک “بج کات ار ہے۱ ۴م تيرق باتک ے لیکن اس 
“بدت ل ددرت لال سے ا لگ ایا کا تھا کوک ن مك ہار ت مرک بھی اک یکر ے 
ہیں :ال متل یا ار کی کہ نے مشرک اورو ںکیبھی عار کر ے ہیں اورسلران الث ىك 
پاد تك تے ہیں۔ 

چنا هاشتعالکافران > طوَقُضى زنک الا درا لیام بلقن اتیل ی مد 
س ےک عبادت صرف ای کی ہواودوالم ین کے سا ھ کیک لوک رکھا جا ۓ ؛ ی تال نے اثالون 
ا جنا امرف ات کے لے پھاکیاے؛ارشادے «رَمًاخلمقت الجنْ والانسی 27 


کات زا ل ل ما تفارک 
نتن ونس میں نے انی عبادت کے ے ی " 
حضو رارم نے جب اعلام دام کت نے را سب سے پآ پل لق علیہ یلم نے 
الب سے لو ں قرا (تَغداللة ولاتش رک به شین یف ریاس رہ او رایت ےسا تح کک 
کو یک نہ بنا 
ایک اور یث می ستضوراک رد کی اون علیہ لیم نے حضرت معا کوفر مایا اے معاذ اتی > 
س تم یکوش کیک نک رانا اکر چ نم ل جا 5گ میں جلائے جا 
الغ عبادت الفدته ال یکا اص ے اورالث تھی کے واک کے لئ جام تيل »لا ال ال رای 
بی مطلب سكا بجت روانش لکشا تبان ہما جات مل يكار نے کے لان نز رون داوم 
لصف ایک ال دتعال کی ذات سے رات کے دہ بے ایک یشان حال جب اتی یلو رکارتا ےل اللہ 
سخ ہےءای لے اشفا اد ترا کردا جک رال مصيبت دد ی پا پل کی مددنرے اب گر 
کو ش١‏ ت کے دد بے غیرا ارتا ےو کی ےکدوخوصویاہو وا 020000 
غلا یہ ےک تیاو تک ہش اللتوالی سا تفا ہے چا ےنماز جوم كدة ہواور ہو یا 
ري رعبادات ہہوں روص خی راوشد کے نام ب ياي روگ ديا تو اس ایمان کے جه جاه 
کاخ رہ س کیک یات کے جوانے سے ب ل عباوت تاکسا تدخا ے۔ 
امام راز ی را ے ”إن الِْبَدَة رن نه اة اميم وَهِيَ لتق امن 
صَدَرَعَنْهُ َايَة عه“ (فیری۴ ص٣٣(‏ 
“لق عبادت نم نانمس اور نیزا زا تک ماجنا انعامات 
واحاناتكاءا ہو“ 
علا ابن ایم نے عباد تك تقريف يرك ”الاه اة عن الا غاد بان لمعبو 
مَلطة غَيْبِية يَقَدِرْبِهَا على النفع وَالضْررٍ'“ (دارج لین رحاس +0 ) 
1 0م 
وتتصان فد رت رگتا ے' 
ارييف ے معلوم بوال_عبادت انال اک واكشارى وضع اورتزلل کا نام ے 
ددع پار سے شی قد د تكاءل اورغلہے غيب اورتساط عام کےمقیدر ےکا نام عبات اود افو 


على خطرات, ۸۰ ۱ باد تصرف اشکا نج 
الاسياب امورل ان ججز و لک فانک لے مانن رام ورك سهد 
حر ت نو عل یھ السلا م سیر سل اٹہ علیہ وک م یک تام ابيا رام نے انی ا تو موں کے 
سا بی کقیره ركعاتها ءاورال عقي کنا سه ابيا كرام کی نيس کی اورعام میرانوں يل م ے 
ب ےر کے مو سے اوراى تخ نا 
يزه کار را > ازل ے ۲ امروز 
وا وی ے شرار وی 
اب زرا یل تس ےک انیا ءکرام نے قو م سا ےگس طررح گے ت حید اوردگواۓے 
بارت لکیا۔ 


حمر تنو علیرالسلام 
قد ازسلنانزخا إلى مه فقَالَ يَاقَوْم اعبدُوًا له مالکم من اله عَيْره به رعراف) 
”ہم نے فوع (علیہ الام )کوان کت مكل طرف ماو آي ےکہا اے می رکی تو مصرف اشک 
عحباد تکر وای کے موا ہا راکو مور _ 
تیم تست چن بھی آپ لا ظ١‏ کب فرماتے ہیں جب بت بق کی و بای لك 
و تلحر تور وھا ول نے اپ یو اڈ ست فوسو بر لكك جردتو ىك طرف با 
اوردتیاوآ ت کے عزاب سے ڈ رای وگول ا نک لیل وی لکی اورکوئی بات تسق ,7 خرطوفاان 
سکن اب نے س بکوکھیرلیا۔ ( ی عنالی!۲) 
همرت ٢و‏ رعلا سل 1 
وال غاد اهم هوا قال يفوم لوا له َالّكُمْ من إل عير تون رسوره اعراف) 
ادر عاد کے طرف ان کے بھائی بود( علیہ السام کہم نے تتا آي ن ےکہااے می رتو ماش 
کی کی عبات لوال ارو جوز سویام زر نئي" 
رل تند تل ال طرر ہیں ”عاد صرت وع علیہ السام کے لوس ارم کی اولاد 
ل لاي مالل کر فوب چا نکی کوزت قاف “من مرت فررت ہودعلی السا اس تو 
سے ژیں ا کلحاظ سے ده الن سك وى اوروانى بعال ہے »ان لوكس بل بت مسق بجي ل کی تی روا 


می نطرات ۸۱ ہا تصرف امک لت 


سي مسا ان ےتندرس تك نے تلف مطالب دحا جات کے كا نک اتک د ہت نار کے نی 
نش بو کی یلام نے ال ےددکاا رال جر می مکی مزا سےا نکوڈ راي (آفیے خی ضص۳۷۱) 
رت صا یلام 
بای نود آخاهم صالخا قال یماد الله الک مَْ له ره «سورنه اعراف ) 
اور مووک ط رف ہم نے ا نکی بعال صا (علی السلا م )کاپ سا مر ی مانت 
یکی عباد تكر بارال کے سواکوئی مو ہیں" 
ومک جاب 
يركوا نک قوم نے مث دع ری سے جوا ببھی دیا سین میں رقو مک جوا ہل نہ 
کر کاوہ سب ت رآن میں مو جور ے تا م قوم صا کاجوا بق كرتا نبول دوسروں کے جابات ای 
0ت 
«فالون صالخ قد كنت فِيُنامَرْجُوٌَاقبلَ هذااتهَاناان نعبْد معد آباء اوانالفی 
شک اتواه مرب (سورهود) 
اہول ےکہااے صا ال سے نسل ته امیر یکا تو مدل ان مخبودو لک عباوت سے 
میں ہمارے بات دادال و سج سك کرت - یک تم ( ال مسق حير )کر فآ تمل لت سب 
فک یں 
دالا نیا ضرت اب رايم لالم 
راد کر فی الکتاب إِبْرَاهِيْمَ انه كان صِدَيًْا نيا قال یه بت لت 
مالایسمع ولایصر ولایفیی عنک شیاه (سورۂ مریم ) 
"اهکناب میس امي مكاذ كر یی بے شك وو بہت ى سے بی سك ء دہ ونت قال زگرت جیرال 
نے اس باپ س کہا ءاے یر سے با پ تا نک پار كيو ل کرت سب جونہ حت ند میں اودش تیرے 
متس 
یی بر جز وکن واو رمش كلا ت عل رک مك1 کے رو اجب الو جور ہوء ا لكل عات 
بھی باتش چا ایک بت رك بے جات مور ی جونہ سے شب نہ ماد سا یکا مآ سے شود مار سے 


می خطبات ۸۲ باد تک رف اتہک ن ے 
اتک تراش مول سملي الى ال اورخوددارکا اش یں مرک( دیس ۲ 
جز بت قوب علا للام 
ام كنم شهدآء اضر يَعْقَوْبَ الْمَوْتُإِذْقَالَ یه مَاتغْبْدُوْنْ من بَعْدىُ 
نهک واله بك يرهم وَاِسْمَاعِيْلَ احق الهاو اجدًا رسورنه بقره) 
کم اضر جس وت لتقو ب ( علیرالسلام )امو تآ جب انہوں نے اس بل ست كبا رس 

بحر م کل ی عبادت و انہوں ت کہا ا“ 
رتشیب علي د السلا 
طوَاِلى مین آخاهم شعیاقال یرم وله الم من إلِغَيْرُة4 ر اعرافم - 
"درم نی طرف ان کے بھائی شیب (عليدالسلام كوم نے تا اول ن كهاا سیرک 
توم ان کی عباد کرو ای کے سواتمہ اگوی مو ہیں" 
ہےر تک علا اسلا 1 
مانا ترك َاسْتَيِعُ ابی ایی آنا الله 4 نی پ4 (سورئہ طم 
نے نت بكرليا بل تد یق مويه شو ل صر ے ہوکوگی متبو ہیں بل 
مرك عاد کرو 
حطر تی عل السلا م 
وا الله ری وركم ادوه هذاصراط مُسْتَقِيم4 (سورئہ مريم) 
سک اتی رورا راب سے ہیل ال عباد تک و یی سیر ار اسنہ 
شی میرااد رق اراس كارب الله سیک بلد یکر سے لو سے مت بنا حید الم کی 
راد یہی ہے ال می بانع یل سب انیا ما کی طرف پرا کر ےآے نا وگول بہت 


5 
= 
-~ 


مب دو e‏ و 


یات Ar‏ ادرف الک ثڈے 


نام انیا رامش رک ہدوت 
دوماازسلنامن قبلک من رَسُولِ الانوحی اليه أله لال إل انافاغدُون کہ ( انبيا ء) 
”اوھ سے يكبل م ےکوی رسو بکترم نوو یکر سة د کہ بات بول ىك 
بنرك ل سا رتسو رک بتر یکرو 
تن تام ایام دمر نکا ہاگ مقید قو حير رر کی يرن بھی ایک ترف اس کے غلاف 
ہیں کہا بيش کی لق نكر ےآ کال دا کے موا یکی بن ری ہیں تو نس طررع شل اورفطرى دولل 
ےلو حيركا بوت ملا > ادر ر کک رد ےا ہے توأ ہشیت سے انیا م السلا م۱6 جاک كوا 
حير یقت بطق وليل ے۔ (تنيرعنا) 
سلطان با ونے پ ابا بت 
بر ند مر عأ كل مجود الا ہو 
وصور فى . وی ولا مور الامو 
چوں © ارست آرى ما تا 2 داری 
از غيرتق پر لا فان الامو 
کر م رو توا 
دن اسلام اورانیا نظام م السلام ن ےکس ررح خی الك عباد تک یکا ہے اورعيادت 
کو سر انہوں نے الڈدتھالی کے تيد خا سکیا اورانہوں نے فو حيدك لل طررح وا اوردوٹوک انداز 
درل دیاے اورک طرح کل از می انہوں نے شيك كات يدك سب لیکن افسوں اس بر ہے 7 
رک مركي نكرل ہو جا + کا فراوروا یکا ما کرام سا نکر یں نو یہر سے کے موم راک قش 
لا نا عالی نے اپے ا" ہارشی ال رح وا نکییاے۔ 
کر رات کی ها فو كافر 
کے گ رر بب 7 6 
جر كراج با غا م وکر 
لب میں ان کرش قر کف 


ی خطرات f‏ عبادت‌صفاشکان_ع 
ہے ہے -- ہے سے سے mm a‏ ۲ ...اف وضع aD‏ فلت نصح ے- ےم ۰ 
كر موموں ہشادہ ہیں راہیں 
یل کین شق سے تل کی ماش 
مزادول ے دن رات ری مان 
شہیروں لت اما كه الل دعا يل 
بی کو ج چا ظا کر دکھائیں 
الاوں کا ر7 1 ے مان 


د حر س یه ظل ال ے 2۲ 
نہ اعلام بات نز امیان ماع 
اب الم وضو کی مناسبت ست ایک وو بھی ملا حتف ما بل ۱ 
حي سرا: 
حر تک ران الیک کیال ےآ پ کے وال رکنم کن تاران بيا نك ے ہی كاك دفو 
حضو راک کی ای علیہ یلم نے ساپ ان سح ها كرا تنم دن میس کے معبودو ںکو و جج ہو؟ 
میرےاباجان نے جو اب د کہا ت ودد لكو يوجن مول چا دنورا کآ سان بر سح ضور 
نے یعادت اورمیبت کے وق تک سک طرف رجو )کہ سے ہو ؟ ران ن کہا جآ مان بر سے 
تور ای علیہ یلم نے رای کاس تن ارم اسلام قب لکرلو گنو میس کے ا دو کے سکیادو کا 
ترس مفید ہو کے جب نین نے اسلا د لکرل یا پ نے تضوراک رم سل الث علیہ یلم سےان 
کیا تکی سکھان کی درخواست كى تضوراکر سی ال میم نے رما اکم پڑ عو اے اب ر ے دل 
“ل دو رای کا لو رذ ال دے اود نک مرک شارت ہے فوفر ارے۔ ( سروس ۲) 
کا ۲: 

۱ سبك مرا الک مشک طرف بھاگ الا جب سحندربارکرنے کے 2 
کش ٹکیا چک شف ندرک موجوں می جن سک تی می تا سار امب نے کا 
کال ال دت مر ف ئ سل الل لی وم کے رب کر وکوک اوقت صرف وی کرک ر 
ن ےکا ند چات دن د سای بھی الل کے سوائجات دہند کول نہیں ے۔ ات 


کات عاد تصرف ایکا ے 
ین ۵-31 که ابھی مالیا تسل یہ وعد کرجا ہو نک تھ کے ماس چاکر اس کے ام می بتر 
رکھو ںگاء امیر سے دہ کے معا ففرا بل سك چنا ریا ۱ (آفے غر سس 
کا ےم ۳: 

ایک تیال فو جوا تماد ے ایز اس مسلمان ہواجب اسلام شش وال ہوک راس نے و یکھا 
کہ یہا ںبھی پچ لوک تبر ہق شل ملا ہیں او قبرول ب عا عا جار سے ہیں اوري انش کی 
نذرونیازد گے جار سے ہیں اوراڈدتھالی کےسواغیمرو ںکوتا تباش حاجات شل پکاراجار ہا ےو سے لها 
یس نے سای تصرف اس موز اق ک اس می سور یھی اورک رت مركم او رط رست ىتا 
اللام سے ولآ کے مد 2 اسلا یں ھی ثبرول کے کے کر سے ور ے 
جوز راسلام تو یرام بردارن ہب کے ره ناج ؟ هرس اسلام میسن کافا کر ه ليا بچھردہ 
نوچوا ن کی حلاش ميكحو موم شطع سوا ت هل اس نےمسلمانو وق حید يرقا م دیات کے کی 
بال رگ حید يرست ہیں اور یغرو ہیں اس نے زنر ىكز ادل شرور کروی 

ایل تعالٰی تما ملمانو ںکوایک ى ربك توحير ام ودائم ر کے رن وور یت ے وات 
ر گے اورساطال با ہو کے ان ابیات ےنہر فر نادس دا 


لقن ام رب الم کہ لامجود ۱ ہو 

وانقصور فى للونینی ولا موجور الو 

دلا لابدست آرک یا تما چ م درک 

كاذ ٹیر تن پاک ل فان الام 
را ف کر ا از و ڑم 
وا سم بقل انى رب 

رسے خش وق بھی قال بھی 

الى بین بان میں٠‏ امیان می ساسا بھی 

ای مور میں آار تھے ہین می 

ال دتا میں بورق بھی تے مرا ی بھی 


ھی خطبات ۸1 عبادت صرف الک ن ے 
0000 تمع امي 
بات جو كاى مول وہ بناٹ یکس نے 
تقل تومیر ک ہر ول چ اا جم نے 
زي م کی ج ينام طلا »م نے 
رآ وعد یٹ 
قُلْ إنَّ صلوتی ونشکی وَمَحْبَاىَ وَمَمَاتِی له رب الَْالْميْنَ. 
لاتم ادوا من دونه آزلیآء ايكون لشیم تفغاولاضرا. 


۳ 
م2 م 2 


ان حَقٌ الله عَلَى الْعبَادِ آن يَعْبَدُوَةُ ولایشر کوابه شینا. (مجمع ج ا ص 1۹). 


ی خطبات ۱ 2 ل و عا مالف ب صرف الت ہی ذات ے 
ول 9۹2ا کت یندم بل رو ذگراپل 
موضوع 
عام الخ ب صرف الڈدکی زات ے 

قال الله تعال ىفل لقن فی السموات ررض اب إلا الله وم 

يَسْعْرُوْنَ ايان يعفوّنَ 4 (سوره نمل 15م 
آ كبرد حك ل الد کے ہوا آ افو اورز يان می کو بھی غی بك با ستل جات درل ا سک کی تمر 
نی سک کب اٹھاے ہا لگ 

وَعَنْ عَانشة قالث من حَدَّنَكٌ اَن مُحَمّدا رای ربه ققد کذب وهُوَیقوّل لا 
تذ رکه البصار وَمَنْ خدنک انه عم لب فد کلب وَهْوَيَفْوْلُ لالم الغيب ال 
الله (بخاری شریف ج ۲ ص ۱۰۹۸) 

وَعَیْ سَلمَة برع قال گان سول الله صلی الله عليه سم فقن هرا 
و جاءَ بل على فرس فال من آنت ؟ قال سول الله ء قال مت السَاعَة؟قَالَ یب 
و یلم ایب إلا الله قال افی بطب َرسِي؟ ۱ 
مت يُمُطَرُ ؟ ال غَيْبٌ وَمَا يَعْلم لیب ال الله ( شر مور ج ۵ ص ۱2۰) 

کر م رات ۱ م الیب الف تیا کی وی صفات مرا سے ایک مت سے جو ال تیال 
کات ناک سے ق نی مکی دیو ںآ یں ا ل يرو طور بوعل می ںک عا م اليب صرف رای 
ذات ے او رک ات میس تن كول لوق ار تال یکی تح مف تم خیب میں شري لكل ےکک وں 
آیات جس اللہ تھالی نے اسآ پکوشیم خجير» علام النیوبء عالم الیب کے الفاظ سے متعار فکیا 
ہے اكع غيب توا یک توف تک ںی ت برقع رومیت سے اس سے زک رک كي اضرو رست ؟ 
را بی فا تد وکیا تھا۔ در اص میب کے سل میں يهال ون نے ویکھا تكح كقيد تک کیال کر 
اپے دل اوخوا کر هکوش شک گر انبول نے ا سکیس دک كا ياش ريدت اس چ زک اجا زت کی ديق 
ج با ال چنان وه اند ھھ مول رعقيدت پآ اورش ريع ت كل ديعا عالاك ل عقيدت وی مت سب 
جو بيعت کے جائع ہو مشا فم فلا سف يبل ای كلوه ا كا قال م وکیا کان کے بول یل اك لوت 


عا الف ب ترف الت ہک ات ے 


“ی طیات ۸۸ 5 2 
او راک ے اورا ن كوا ررح علم اکل سك اک ایآ وی شرن یس جو ہبڈ عر اتر ب ۳5 
کے احوال معطو مكر کے ہیں چنا نی فلا سفر جس سے مشا مین کے کہ فلا ہف ای تیر ے قا تھے دب 
شی ترات هد راکیچ یحم کے بن رکوں کے لے نیب دای کا۶ اد سے ہی 
انہوں سکب اکران سے ارس بادوامامزیادہمنزل رسیدہ يك ہو سكت بنرك ہیں بارال نے اعلان 
کیاکہہمارے پر ام ليب جات ہیں اوردہ مریگ حاضروناظر ہی یحو كو جب بر يلوق حرا نے 
ديعن انہوں كه ا كرتم یی کیوں ر ہیں انوس[ انبا كرام ورخصوص] ضو راک رم سی ارف ور 
ما کان ومایکون کاحا م الخ كبن ش رو کر دیا رای میس تر کر سكيم عبرالق درجملا یھی ءال 
الخ بکہنا شرو )کرو یا اور اور یاد ہفوک کے پر یی اود مل ہاولیا ریگ فی بکا منصب علا نی اودش ريدت 
کا خو نکیا۔ اب جس خوش قيده عام دين سکب ابيا يلف فورأاس يردوفق چیا ںکردیے گے 
از ل نی یک نش روهار اولياء ہے ۔ دوس را ےک ينض وبا سے ادرو با یکا تورانہوں نے 
عوام ےول ود ما یل بحلا ديا ےک جوخداکا یھی صنگرہواوراخمیاءاوراویاء کا بھی وشن ہو پل خی سامون 
| ےگ زیادہ بت اوركرادر ووم وہ لی ہوتاے ہیں۔( لا حول ولا قوة الا بل 
اب او زع فی بک تر لیف کین ے٣‏ كدي علوم و حل یب کیا ہوتا سج 
مال ۔ منیب زا 
منیب انیب دالی کا ایک خینوم اورایک اصطلا یش ری من ہوم ہے ۔ بر وی رات 
وی بوم ارات کے ج دتا ب میں قوام افش چم رد نے ہیں بین تر می ےک رصان 
لهاست کہ يهال دنا کی هلال اور یاری ومکاری ودغاباذى یہاں ره جا گی اورمرنے کے بعد 
ا ام اٹ ےآ ےگی۔دہا کا چنا چا مغ کہ رآ ن لیم ینکر نی كيا؟ احاد یٹ اور بط 
داتعا تک كلز جب نو نی لك ؟ فک ون ی کیا ؟ کب يهال عقیدت ش لی تك ماع ے وخقیرت 
بل تی تس اور ت ہے جوش لت سك منا ل ہوہ ور نہ تیا مت کک ہرخقیرے وا نکی 
کقیدت تلا شربیعت ن جك اور صلی شریعت جو ہی اص[ مکی الل علطم لاس ہیں دو ہو 
باه لبذ كقيدت اک عرتگ ہے جہا کک ربعت اجاذت ديق ے۔ 
مان بک آي کی ظیر ے ایا عد تک 
سلیقہء شرت بشر کو شا ے 


تن دنا ا ہت 
لگا جاتے ہیں جہاد کے مبیران دل باغیاں دینے ہیں الف دتھالی سكا ست میں شقتين انها تے جل ان کے 
ل ےکی مشک ت اک ره ےک حضو رارم ماکان ومایکون زره 7ہ کے عام الغیب ج ں مشك لكشا 
ہیس حا رونا ظر لالتخا ی تام صفات می القدتقال کے اتر یک میں »الله کاو ر سے يرال اش 
یل اس ينف سل دناکے ابل پا ال مرا کی صور تک نک بیرف واهداه لدابت 
آل اور رارت خو ہو ے اورول میس كت 5 
االنہ مرك ترفك عل زور ده دے 
2 7 کو كور ا ده 
یسب ها سان تا نق رآ نکر اهاز یس وبا حضو رکم گی احادیٹ اجازت 
یں دست ء فقا لای لالتخا تن اپ وتا تی کا قد وش مسلف صا شی نکا ريط یس 
اس سك ہمارے لے یتشک موكيا کہ متاق کے بكس _يتقيقت جز ولك اقراركرلال- 
82 سس نا خد الوخد ا كبر دول یل ے 
لاص ی كسمي بك ای فكوا ينانا 6 جوش رک اصطلا یآ ریف چا يج يملع في بکی 
لغوى او ير اصطلا ىلت رليف ملا حط کر بل _ 


لني بك نو یتم ریف 
کل ما غاب عن ليون وَكَانَ محصّلافی لب فهو یب رفقه اللغة لتعالبی ص )١‏ 
اليب مَا غاب غنک . ( مختار الصحاح ص ۳) 
الب نا يد يدك شمرن۔ جو ظا ہرنہ+وووفیبپ - (عرا‌ خ‌اضص۷۰٥)‏ 
ثب لصا قت ريف 
علامبيضاوىفرا ے ول بُو نون بالمَيْبٍ الخ وَالْمُرَادُ به الَف اذى لا یرک 
لحس ولا يفصي بد اه لعفل وهو سمَانِ سم لا یلع هر لیبق تعالى 
نةه مایخ اقب لا َغلمها إلا هر وَقِسْمْ نضب عَليه بل کالصانع زصفایه لیر 


"ی خطبات ۹۰ 


فينع اننع کے يرت سد ر و ا جن __ جس 


عا )الخ ب صرف ال زات ے 
ق ي اٹ 


الا خر واخوالہ وَهُوَالمْرَادُ ب فى الايّة. (تفسیر بیضاوی ج ۱١ص۱۸)‏ 

۱ یب سے مرادووگی بزل ہیں جوا سيا درک نہ مول اورا لكوبداهة العقل ر 
اس ریبک د تن ہیں ایک دو ہے ٹس پل رل ضہہداورق رآ نکی آ یتپ وعضدہ مفاتہ 
الغیب لا یعلمھا الا هو 4 سے سام مراد ہے ادد ورک کم دو ہے جس ردس ل قا م ىلق موب نو 
اورا لکی صفات اور لو مآخرت کے اتال يبا ليؤ هنون بالغيب عل خیب سے مادم 2 تاش 
ادگ کی الى ات ملك بک اص ريف اس کے پیل ول س ےکک یب دہ ہوا ہے وال 
ساره باد سے بالا ت ہوک رس یکو حاصل ہو جاۓ ننس ير نلک ستل ہو نہ حواس وونل کے 
اعاسط میس جو سکودوصرےافول شل کہا اک رييب غيب دا نکی ذات مج سے جو بای 
دسا لوی مل ہے سید ہم ہے جوقی بکہلان ےک ا اوران ای مکی یجیں دال میں کر 
نیب نام خداسچ ار فرش الصف تكو ان شرك کے مترارف ہے۔ارشاد بای تعاس 

«#قل لا بعلم من فى السموات والارض الغیب الا الله اورفرا) لإ قل لا اقول 
لکم عندی خزا ئن الله ولا اعلم الغیب ولا اقول لکم انی ملک) اورٹرمایا وعنده 
مفاتح الغيب لا یعلمها الا هو اورثیا ان الله عنده علم الساعة) اورفرايا انک 
انت علام الغيرب له غيب السموات والارض» اورثایالاقل لااملک لنفسی 
نفعالاضرّلاماشاء الله ولو کنت اعلم الغيب لاستکثرت من الخیرومامسنی السؤولله 
غيب السموات و الار ض 4 ادرث مایا قل ما كنت بد عا من الرسل وما ادری ما یفعل بی 
رلابكم» اور اومن اهل المدينة مردوا على النفاق لا تعلمهم نحن تعلمهم6 ادر 
ای عالم الغيب والشهادة) اورم ٠‏ لإعليم بذات الصدور #اورفرمايالإيسئلو نک 
عن الساعة بان مرساها فيم انت من ذکرھا الى ربك منتهاهای. 

ارا میات مل دانع ودب جا گیاک یب تالاصتا 
تھا یک ذال منت سے ۔ ۱ 

یات کف یریس علي ل سلا حظہوں_ 

ولله غيب السموات والارض ان العلم بهذ ه الغیوب ليس الا الله تعالی. 

( ری رد۷ ۳۳) 


ولله لا لغيره غيب السموات والارض وهوماغاب فیهما عن العبادبان لم يكن 
محسوسا ولم يدل عليه محسوس. (سراج منیرج ۲ص ۰ ۳۵ 

ان الله استاثربعلمه الغيب ركباب الام ج× ص ۳۰۲ 

من ضروریات الدين ان علم الغيب مختص بالله تعالى. 

(صدرالدین اصفهانى بحواله تفسير بينظير ص ۵) 

وبالجملة علم الغيب بلا واسطة كلا اوبعضامخصوص بالل جل وعلالا 
يعلمه احد من الخلق اصلاً. ‏ (تفسير روح المعانی ج٠۲‏ ص۱۲ 

انما انا بشر .وهوردعلی من زعم ان من كان رسولا فانه یعلم كل غيب 
حتى لايخفى عليه المظلوم من الظالم. ‏ «رشادالساری ج١‏ ص ۲۰۳) 

انما انا بشر لا اعلم الغيب وانكم تختصمون. نسيم الرياض ج٣‏ ص ۳۱ 

قال متلى تقوم الساعة؟فقال رسول الله صلی الله عليه وسلم غيب ولا يعلم 
الغيب الا له (مستدرک ج ا صے) 

وعن ابن عباس انه قال هذه الخمسة لا یعلمها ملک مقرب ولا نبى مصطفى فمن 
ادعى انه يعلم شینامن هذه فقد كفر بالقرآن لانه خالفه. تضیرحازن جه ص ۸۳ 

من ادعی انه يعلم شيئامن هذه الخمس فقد كفر بالقرآن العظيم. 

(عمدة القارى ج> ص١‏ ") 

قل انما علمها عند اللّه لم يطلع عليها ملكاو لانبياً . ریضاوی ج «ص-ع۱) 

ای لو كنت اعلم الخصب والجدب لا ستكثرت من المال لِسَنَة القحط وما 
مسنى السؤاى الضرروالفقروالجوع. «ملمع ص۱۷ 

وال لا ادری والله لا ادری وانارسول الله ما یفعل بی ولا بکم. ربخاری جص۱۰۳۹) 

فلا تعلم نفس ما اخفى لهم من قرقا عين ای ولا يعلمه نبى مرسل ولا ملک 
مقرب . (مستدرك ج٢۲‏ ص 16 6) 

فلا تعلم نفس لا ملک مقرب ولا نبى مرسل . ربیضاوی ج۲ص۱۵۸) 


می خطبات . ۹ عا مال ب صرف ار زات ے 


و1۳5 1۳۳۲ __ سس 
۰ 


على خطبات ۹۲ ام اليب صرف الثدذات ‏ 
علا مر اصفير الى کت رليف 

والغيب فى قوله تعالی يؤمنون بالغيب مالا يقع تحت الحواس ولا يقتضيه 
بداهة العقل وانماالعلم بخبر الانبياء عليهم السلام . مفردات القرآن ص ) 

او ریب ان تال کے ٹول ومون پالفیب عل وه سے جو نہ جوا یکرت میں؟ کے کل 
تقاضول در یافت ہو کے يلل و صرف انیا مک تجرے جاناجاۓے - 

مرت شا عبات مک مرف 

زان( )ا 2م ادها ای یع ری 7 جنا سابل از جود ان غا از چنیان ی 
دنه يللم ورگ هک عا م الغييب ات وخی راو را معا نيست د 

ز اكيب نام جز یس تکراز اد اک توال ظا جره باط غاب پاش ر ح اضر جابمشابرو رال 
اف شودہواسباب وعلاما آں نیز ورش ل ورد نات بدايمت اتر لال با فرشو 

( ریز کپ رجا رک الک ۲ع۱) 
کول ( مين رسول اکم )ما الخ ب تن ہوں اورا کدوک یکرت ہوں جیار 
ال سے يك ہار ے ( فی جور )حا تک اکر ے تھ بال عام اليب میراپروردگار ال کے موا 
تک کیل فی ب نیس .کوک خیب نام اس چر؟ سے جو ظاہری اور با حوا كل در يات سے نا مب ہوا 
ل تحضر نہ وکہاسے مشاہدہ سے در اف کر لیا جاے نیال کے اسباب دعلا ءا تک کل رلک رک نظ 
انیس کے ہو كاستدلال کےذر یہ سے دہ اسل ہوجا ۓ۔ 

ا ل انا يفات سے ہہ بات دامح ہو جاک فيب وو بو سے جو وو اس طاجرهاور 
نہ سے بشید ہو رال کے لاو م کی انرروی طر یق سے ماگل ہوا ويل سے معلوم موكيا لغرب 
کن زات ے ہے اور یال یکودے ینش سا ہے۔ الہ رال سے ککواطلا ]سک طور پر 
کرکے بقادیا جانا چا دای خی بل ر تا س كولج لك تاد كيا اس نے حواس ابره پا کے 
وال سے ها كيا دج کی دا سے ما کل ہوا ہے دوفمی بیس ر بنا ےکہیں سے بي معلوم موكيا 
كمالها م لشف و نرہ جووسائط سے ما کل ہوتا ہے دو يبال ے د 


على خطبات r‏ ام ايبص ف التدكى ذات ے 
ہے mor‏ ہد عم "۳ O E‏ ص .8ػ یھ عت- از 7 ے۔ ا ال نے ے۔۔ -۔ٛأ۔- ل ہے سس 


تع الاسلام علامہقا ری ق ر لیب صا حبك نج 


اي محال ال تک غی بک بات ہک یک حواس ول او رکف رکف وا شاف ے با بو 
مر کی ار کر سے انت :نیب کے ین نام ےک را رت 
ى ہو کے لک ری ال علیہ ؛ لمك اط تعلق ہم کی سے ےکا رخو بر 
سوال ہوک ال ہک کیت سا ہوا طابر ےکر کے لے خو ترک ل رکز راما توا ی بات 
ےق میک اقب عمال مت تماق فى ہیں یئل 
و روك رت ونير ہکان سے اتیب ماص یل وو نی تق مر بر .خر جیا 
کاتیا ی ان وسائل ےکم غیب ماک ہیس + تق رر کے ہج ے تفم ریس خر نز رل 
2 لوی کت ہیں اگل ب كلك خیب کا ذر يدلو کے لح صرف وق ے جو یبر ےراہ 
رست مون ے اورا كوا سکیا بواسط برای سے اورا ی ط ریت او راسي صرف دا کی اطلا ٗی 
غيب بلح ہو گے + ہیں خودايقكى از راک طا لو اکس ووجران سے عنم مس ہو کے _ 

( رسای ف غيص ع ) 

ریت مولا نامز یرف ماتے ہیں بكم يب دہ ہے جد بلا واس لکسیاب ہہوہ ج بھی وه پا لوا سر 
آ ےک ووم سک لكل خیب نہہوگا بام فی بک مد و كيت اوک وک نال ہہ کی اور سب جا ے 
ی هکم مادک دسائل سے وق الوك ایک دسیلہ ہے باون وسیلہ ے ل تو سیا سے عم 
شرت سك ابتداءول ہے _کشف ہو یهام فراست ہو یاوچراان»سب بح کے وسائل اوروق کے 
دس گر ! بح میں ت سے میس شود صل 520 (رسا لیک فيص ۹و۱۰) 

لاه بر مات يل ال سح مايال ہوجا تا سكعل غيب کے ی لفت میں ىقل نے کے 
بان بے کے تس وت شم فی بکالفطالخت می یس یلصا رح کے طور ہر استتھال ہوا ےجس 
سے ی ہو با ا نب اشياء کے چان لنت سكل بک اکم کے ہیں جد ماد دسا کے واسیطہ کے 
رود دحلل ہو م وه ساب باد ہے سے ا ب وشل بم وال کے زر جوا تکام 
مالك یتو اسل فيب کہا ہا ككلم ورات ۴م ےی ہیں اور بی ات ان ع 
کی فی ب کی نک تاش ےلین پر دواصطڈا مب ند رل انوس تک لم جم نے ان 
اباب کےذر یچ سے عاص کی جو مارا علم کےتصمول کے نی الى اباب ہیں۔ 


صھی خذبات 9 qr‏ عا لم اليب صرف اشک ذات ے 
7 ینا تم نے سو ججار مل وت براورکر فر سے چند نا خلوم مان ملو مك لئے جد لا شی 
زار لاد قيب ریسکا ےک اک یں کم یب عاسل ہوک یا دراب کا ادرک میں 
گر نظ راو رسو و يجار کے یلح موا تال كا مرکو یاک لکر نے ےی اساب اس جات ہیں اور 
سا ب طبتير ارس جوم صلل ہوا ا سے اصطلا ع نب كرغي بک ںسکہاجاتا۔ 

مشلا با واولا کہا رکف والہام کے ذر هک بات کاعم مو ہا سے ج یتین ای کی 
مرق وڈ تسيب س ےکی امور شاف جوا یر میب نہک ریس سیک 
شف والہام بھی رال تو لع مك ایک قد ل اور عادی وسیل ے جخص و اف دیا سے اور وال 
کے زر اج باس بڑے اسرار مج ہو جات ہیں بہرعالی عم ےک وسائل ہوں يا معنوى کل ہوۓ 
زرا ہوں ياج ہو ۓ ڈرال مول ءان سے اسل شوشر لمي بش کہا جا ےگا ا وا رہ ےکہ 
جب اصطلا ی یب وت ہوگا جوعادى وس سے بالات چوک بلاط یاب ا زود و اکل ی 
لريب یز ات با برکات ون او رک کے لن »کاس کول ہی رخداکو ج ب کی کم وک اور 
جیا بھی بك وعدا الى سے وکا اود كور وسال تمل سے کی کی وسیل کے واسطہ سے ہوگا خواووگی سے 
ہو نف دالہام سے ,تر ہے ہو ا وال سے ال وقرد »اس مل خیب خاصخداوندى لگ لآ 
اوقت رآ ہوا ےک کس بھی برک ریب ها لكل جب ہکو بھی خی راہ جم سط اسباب بذ ات نوہ 
ارس سکن شا ایام ون يا وی ول یا ارداں تہ سے برا نگ بات ےک انیا وضو 
مدا ایا اي مک تا قلوجات کم سے بدر از اتاو رفا أن سے ( من ری )کی کر 
عم اليب نی بك اطل نی كي اس چناخ رق رآ نکم ےک فی بك وحص هس تصرف ان 
تی کی رف سوب اهراک سكسا تفصو تلا سج دفر ما 

قل انم اليب له نتروا نی معکم من الم رِينَ». 

شن دس ےک خی بک جات ار یجاسن سوطتظرر ہو یماد سسا تھا انا رکرج ہوں - 

طقل لا یلم مَنْ فى السّمُواتٍ رالارض المَيْبَ إلا الل 

شی کرد ری رکتاجوکو یآ سان اورز من عل سرا _ 

ولل ْب السموات ررض وليه یرم مر کل 

أن الشدى کے ال فی بک با تآ مانو لک اورز ج نکی اورا یکی طرف رجور ہے برچ زک - 


8 شی خط تت سس سلس لس نهل ل ل _ الم الفیسصرفالقدں ذات سے 
7119,70 "72 
اراک کے پا تیال میں خی بک كا نولو ہین جا تال سوا 
جوز گنل لیب لا كفت من الک و هی اوه 
ادر كر یں چان ل كرتا غی بک باتكل بہت يبعا تیاں حاص کر وروی برائی ی 
(رما یلم اليب ۱۳۲۱۳) 
كر محطرات: 
یہ سیم غیب ذائی تلق ادا لک كلام را كتفي رين برخي بك یف اور 
ملیف تلا ء ىتشريحات ت فی عبارات میں جلاب ایا کیب ناص خر اس اوراشک اک صق کو تی ار 
عل مانا شرك او ركف ر ے اور یی وا تر موكيا کے تال کے بتانے سے اور ایب کے بعر اور 
اطلا ]غيب کے إحداوراخبا رييب کے إعداورعطاً نیب کے بع برخي بل ر تا کیو یب وى مونا سے 
جو جوا مس ظاہرہ پاطنم سك وا سل کے بغ یکو ما ہو جاۓ اور وہ ال تال یکی تھ خا ای 
تقیق تک طرف علا رھ او رک نےتصیدبردہ می ال ط رح اشا دکیاے : 
ارک الل مارخى بئکتب 
ولاز بى ی عساسسی یسب بيهم 
تال بلندخان کےا لک میں و یکو یی نیش ا رک یب دالی كاسبتا نكس ایا ہا سکس ےکن 
ات اور تانے کے رک عابتا نبا 


روم عطال 
رماع مات مر اور هدوت 
#خطال خیب سے نقيت مس اضالی اورلخوی غيب سے دک اصطلا یش رک منک بتانے کے بعد 
خیب نيبيل ر تا سے ونر دنا کے قتا م افرادعالم الغيب ہو چا یں لكو ضور گرم ردق 
جات سے کر جن تک قرام شیا ہک ینیم صوا کو دی - ماه ۳ تم كود حا مین نے 
الیل نكودى اور پھر ہرز بان تابا م نے کوام الا کرو ل کو يک رہ نے وال واقعا کا جک وکیا کیا 
توراکرم کے اعد بے ارک امت عام اليب بی جن کک مشلا بل راء حش ج وروڑ رخ اور 


اصرف الت ل زات ۔ 
على خطبات ا اچوس رت ےر 


رن ال اس م واكم ایب عطائی کے شبات 

بر نے وین وحد بیش افق تا سج دو کی ہے اب يي خلا مك کب لد رای 
عطائی س ےکی اعرد لت ہیں اورکتقاھراد لے ہیں كرا نكاخيال ی سب كسار ےکا سار وال تقال کے يال 
اغبت ىكم کول طور يرد ديا بذك سه ادلی مو یک حضو راکم داش تھا ٹی کے بالكل 
ب کی ڑ اکر دیا ساود اولي کے علا دو رآ نکر مکی ای تك صرت خلاف ور کی اورا گی ے 
لس توافت لا “اير ےرب مر ےکم لاضافةر. 

ا ب حضو ر اکر مکی ار علیہ وس مکی وفات سے ای كاد هبیتک اد رگم ديق ىاب 
ناف ری دعي كي کی رس وفات سك بعد عام برز مغ شی بھی حضو ر اکر مکی زیر ما یت 
ذ ریس اضا قم کے لے موا لکر ےکا م دیا جا پاہے ۔ میدران حشري یآ کا کی مطال ہا 
اور جت مل يت أ یتک بی مفہوم ہوگا حضو راکم ال تال سے ما گن میس لو قفي نکر ين کے ورال 
02۳ تلو ف ت نکر يل گے۔ اور سے ماگ ےکا سلسلہ جارك اوھ سے د ےکا سلسل چارل 
ہے۔ یہاں سے جتنا ییاهر پا سے تناد ا جار ہے دوگ م ےد ی جار ا ہے توا 
ےنسا ان - 

اٹل برعت اور پر لوحن رات وام انا وتو ری یا ی رشعو ری طور ایک ما لطرد ےکر وتو 
میس ر کے میں اورؤال دعطالی کی موشگافوں :9 بے چا ےگا مکو الا تے ہیں اور اپناپاز ار مارات 
تع نک یکو کر تے ہیں ورت انیا ,رام کے ی ی بات پل ےک جوا نكو تال 
شرف سے ايان سك کے بعداور تسه کے بعد ی یبال با؟اوراگر و ہکہی کر مس سے اہ 
ان ردقا اماک ٹکیا ۔کیونکہجو اڈ تھالی نے ہر تيبل ایق حضو کر سل ار رای ا 
یاد بيك تور الف علیہ لم علوم ایی بو كتاف سے اورت خط رک بات 
ہہ کہا وو ننس ین نے ا لطر کقی رک ےکا ف کہا ے۔ 

باباسعرق کافرمان 
ا مح دک نے اک چ زک طرف شار وكيا دوفرماتے ہیں_ 
0 بے 54 0 دائر ۳ پروررگار 


ہر کہ کور 5 ام ۲ اژوپاور برار 


ی فطبات ۹ یا مال ب صرف اشک ذات ے 
التدتهالم کے ا دیجم اکتا رل جانتامول تو ما سکوی اعتپار كرو 
رکز و ق شتی رل 
بش ہم ر فق 7 د كفق کردگار 


اسي لموم 


7 سوہ ار اش لم کے انیساء الغي ب ووی کے 
زر ےنیل مات تے بل کے کو یکی جک ینت سے اکر وی ال ری ان 
بے کالپ اجو ر ہیں دی ہیں تو ہنیس يلل کا کن سے۔ اس الزرا مکواڈدتاٹی نے الط رح ردفرمادیا۔ 

فد کر فمانت پنغمة رک بِكَاهِنٍ ولا مجنژن). 
آپ ھا کرحت کے ایغ رب کے شل ورم ےآ پ نرخوں سر مت وال ہیں اور ن يؤل 
د لوان »رت ۱ 
تبازک السلسه4مساوزخسی بے بمكتسب 
و ی عسالسی ہے بس تسم 
فام ی کاک یوی رات رام یس یں دودق را 
نے ہیں جو بڑکی سے ادف ےاوراگر وه ںکردی کے بح دیب مراد بت بای ی ے 
اورشایړو اک وجہ سے اس دلدل یل یٹ وس ہیں- 
يتقو ب علي السلام ٹیلیڈ مات ہیں 
ابا دک نے انی ا بگلتان لاح میس اس واق اف کیا ے اورسوال اٹھایا ےک حضرت 
تقوب کو اوس فکا پیدکتعان کے رہ یکنو میں می ل كيول نہ جلا اورمصرسے ج بکرم ردان ہواال وقت 


کے دص پاپ نے فرما اک بك لیس فک وی .فا 
کے پیر ازال 1 رده فرزر 


کہ اے بو گر پر زمند 
ایک آدل نے رت تقوب سے لوا کی ١‏ دون دل برك چا 


ھی خلا ۹۸ عام الغیبصرف القکی ذات ے 


ړا در وه کیلش ديدى 
کر آي نے لوف ےکر ےک خوشبوسوھ ل تو قريب مم لكنعاان سكنيل میں اوس کو 
كول شد یھا۔ 
بف اال ا برثي جبال است 
ده پوا و ور م نہاں است 
قراس کب انمیاء کےعلو کی ما لآ الى کیک طررع ےک ایک وق تکوندکی ہی نطاب رجا 
ے دور ےوتت غاب »دما سب - 
گے 4 طارم] 1 3 
گے عد بشت با شور 2 2 
کی وش بر بين ہوتے ہیں ل جب وشن با ے) ورگ اپے پا کی 
يشت بر يكل دکھ پاتے (ادرگچھووغیبرہ ذكك مارتا سے ) 
لم الغيب احادی کرش یل 
اسلام چیک ایک کال مل ل1 ال رہب سے اس لے اس میں زندگی کے ت م شہوں 
ان انل وال موجور میں واو اکن عقا ند ے و با عبادات واقتضاديات سے ہو یا الا 
لق سياسيات دمحاشیات سے ہو چوک یلم ای بکا مل تا ند سے تحلق ے اس لئ اس ان 
اماد ث »فقت اورعقا دک یکتابوں نبل وا طور ب رابات موجود ہیں مک فت ر یکتب ففأوق ن بھی الل 
یلاوکو لکر جیا نکیا سسب سے يكل نل چنا حا يش كرتا ول اور سا سا تدا کات جن بھی مد 
صرف جل کیا ہا ےک اا یٹ مل جوواقعات الى سك بار سے می لت ہیں وق لکرو ںگا۔ 
وَعَنْ غانشه فالث من خدنک أن مُحَمّدا رای ره ققد كذّبَ ومیل لا 
تل رکه لانضار ومن خدلک الم لب فف کذب هر یرل( یعدم الب 
الال (بخاری شریف ج ۲ ص ۱۰۹) 


رت عاش فال ہی کال نے کے یا نک یک سول ارم سے ا سے رب( کی ات )ل 


مات شد ۹۹ عا الخ ب رف ای زات ے 
ریما مو كبا رگ تا یکاخ ران ےا ہیں اس ماما ط می تسار کے 
یکی کمک الشعلیہ میب دان عالم اليب ہیں قاس توت بولا و القدتخا یکا فر مان ےک 
غ صرف ایتک جا ماج 
( وٹ ) انتال نش دا کا مطلب ےک ذ ات پا رک تھا کوخ م لیات کے حراج یمیس دیما 
اورتہوں ےکی ا كد بیکھا نو رال ت ای كاديجنا ے۔ 
حدیث نمبر ۳. رسمه و قال كان سول الله لى الله سل في فة 
خمراء اد جاءَ رَجُل عَلى فرس فقال من انت ؟ قال انارسول الله قال مت الساغة؟قال 
یب وا یغلم لیب إلا الله قالمافی بط فَرَسِ؟ قال عیب وََايَعْلَم لیب إلا الله 
قال فمَتیٰ يُمْطَرُ ؟ قال غَيْبٌ وَمَايَعلَمُ العَيْبَ الا الله (درمنو ررح دهی۰ع۱) 

حرست لسن اكور فرماتے ل که یک وف حضو ر اکر مکی ال کم سرخ شم ل تشريفف فر 
ےہاچ يكحو پرسوار يلض ]يا اوراس نے سوا لک اکآ پکون ہیں ؟ کم نے فرما کہ 
ل ال کا رسول بول ام ٹس نے سوا لک اک تیا م تكب قا دل ؟ بک ری تسل ال علی کم فا 
کہ خیب چا وب جات الل کےسواکو نیس جانا اص سوا لکیاکہمیر ےکھوڑے کے پیٹ 
کیا ے؟ لت ہے ياماده ہے )ئ یک رم ”لی ایهم نے فر ای کی بک بات ہے اورقی بکوالشہ 
ساكو لبس جا تنا اش کہا کہ بای کب ہوگ؟ بکرم ذف رايلم یب اورا تال 
گ الول خی بیس ما تا 

عد ث٣‏ وَعَنْ حَذَيْقَة رضی الله تَعالیٰ عَنْهُ قَالَ قال سول الله صَلَّى الله عَلَيْه وَسَلْم 

لااذریٰ مَابَقَاِیْ فیکم فَاقْحَدُوًا ِالَذَيْنَ من بَعْدِىُ أبى بکر وغمر 22001101101 
رت مذ یف فر مات ہہ ںکتضوراکرم لی الیرم فر سايكا لكل جا کہ می لک بتک باء > 
یزور كال سك می ہیں اپے بعدا رات بر ای من اورت کیرک رتا ہوں۔ 

حدیت نمبر ": وَعَنْ سل بن مد ال قال ول اللہ صلی له یه وم نا 

فَرَطكُمْ غلی الْحَوْضٍ مَنْ مَرَعَلَىَّ شرب وَمَنْ شرب ب لیم ا یرذن علی فام 

رفن ونر فوئیی یال بن وم فول هُمْ من فال انك لا تذرئ ما 


صلی خطات 5 عا )الخ ب صرف اش ل ذات ے 


ضر کل مین سعد يا نك ے ہی کر رسول ۷م ےر اک یش مكو میس یج کارا 
لت رکرو سب جر را کو سے يا لى لاورس نے ایک بارده پا لد 
پیا سا س م ک-( ال دوران ) به يراك لوكو لک گز رمك لاش ييا فو ںگااوردہ کے پیا ہیں کے پھر 
مر سے اوران کے درسياك حائل ڈال ديا جا ۓگا فق می كبو نک کر رو هاوگ مر سسا يأو 
هآ اس اکآ كاستلو مئال س کان لوكو سن آي کے ب رک کیا ہرتس :ها لوكس او رک یا کیا فت 
يداك سے يمر كبو لكالا نکی ای ہوا نك ای ہوجنہوں نے مر سے بعرو یکو گا ڑا۔ 
يوعد یٹ ریت ابو رڈ ےک مروگ ہے ادراسل شل می الفاظطآۓ ہیں۔ اقول یا وت 
اضخابی فقول لالم لک بمَاَخْدَثُوابَفْلک. ‏ (بناری ہے 
تن كبو لكا كرا پروددگار ایل رسای ہیں اشتقالى جواب شف رما ےکآ پر 
کال سے ےآ پ کے بعرلياكي برت یریم 
سات وافعات 
ان اعادييث بعل دار طور ‏ تضوراکرم سم فی بک ی کی سے اب ان اعاد یٹ کے إحد وہ 
داتعا ت گی ملا حل ہوں جل شل ہا یت صراح تكب تح خی ب كافك ہے۔ بدا قتعا کول تارك 
داقدات یل بللہ ير احارمٹ یں کان كايات اود اتا تك شل تلن اكور ہیں۔ چنا می س چن 
داقعات لگنا مابتا+ول _ 
9 ایک رات الیک سارک یت تضو اکر لی ار 
يف سك ارآ پ کت لیات کر ہی کے اور رمان داسلا مرحمان کے بار ے میں وال 
کیا کرک نے جواب دي رامول نے تيمت سان اروت مر تما لیذ 
زیامت سل :وال جب وى سے وال سک تج موا لک گیا وو ال سے 
ذا ل ات دنس عبات سک چھاتضور نے عل بات بل 
ادیش سے ایک اوہہ بات دا لارام نے ا سآ نے وا وسار 
بلک کیب ما رل | کاب دم شاہدہ کے باوجود بکرم نے ا لنش با بای کے پل جانے کے 


ایبات ا عا لم الغييب صرف اشک زات ے 
روم ہوگ یک زرل مدن تھے۔ دوسری بات بیدا لک هداج رف 

تام ت کا وتو رع لل وت اورک ٹائم او رکب موك ا کا سوا ابش توا کے او رر ویس ہوا e‏ 

یتر ہکتتاخلط سك یکر ماکان دما لا تج بوچ اور جو ہو نے دالا سے ذه تہ ہک 7 

رک ہیں۔ 

(۴) زدوخندق سے ج بآ پ لی الشعلیہ يلم فارغ وتو رت ریف اکر ل فر ےکی خوش 

سے اسراو كيس اجار نے سک یرل امآ ست اورف رما اکآ پ کے تو اسلا رلی لائن م حنداہم 

فرشتوں نے ا بکک !سل اترا ےآ پ ا نکی طرف کل ہا ے حضو راک سی الیرم نے ب چھا 
چک رکہاں جانا سے جج تل یل ےبدو قريظه کی رف شار هیا بآ پ نے ا نکی طرفل کران پہ 
بڑھالگی۔ ریم ۱ 

(r)‏ خر 0 کوایک يبود يدت نے جک ری وشت مل زرط اراد یپ 
کاآی کا بش رہ برا شبيركى مو گے او رپ کوای یات کھانے کے بع هگوشت نے خود تاد اک ھ 

یز ہلا ے۔الڈدتھای نے ز ب کےا شکور و ک لیا وفات کے ود حضو راکم پار بارفرماتے ےک بت 
بخادا د یما رک اک ز مركا اشاس جو مھ تی رل يبود ورت ےکھلایا کیا (یراورجص۳۱) 

۳( حطر ت انس بن مالک اور وکرم ےل فط رلقوں وا تقول ےکی لکل اور ین 
کے چندآریوں ہے حضو رارم 11 ضرمت بهل کر اسلا م بول کی يري لوأك نديد عل بھار مو گے _ 
ول رال مل اوتزل کے اتک امازت 1 تقو رارم سل امازت دےدگ اور جنر 
اون لکیساتھ ددغلا مك کےا کر ے دیا ولگ گے اورایک ااه تق كوه لوك جب يهارى > 
رست ہو ےلو ابول _ تضوراکرم کے ایک نماد مک لکردیااوراون كو اکر لے کے اورخودص رہ 
گے تقو رارم کوایک ده نكة وانے چوا سے ن ےآ کر اطلاں) د ےدک ۔آپ نے ان ولول کے بے 
ایک )ھا ی ودوڑ اد یا ۔ اب باکر فی ب قتا ارآ پکومتلوم تک پگ ای اکر نوا ل ہیں لو رايخ دوہ 
ندمو ومو کیل کیوں روات کیا اراک پل سس تھا تو ہے بات خابت ہو کہ اکان دہ ونکت 
مم صرف اتیل کے پاس > اورالش تقال کک لوا سكول بل دیا سب وق سك ذر سل سے 
جب ىكل چگ اطلا ہو چا سذ وا طلا رع اليب اوران ریب ے جوا لام کے بح راورق رو سے 
کے فی بر تا ہے درا امت کے تا لول عالمالخييب ہوجا بلس 

(۵) حسجة الوداع کےموتے رسو ل اکم اس ساتھ پر کے جاور بكارلا لے سك هاور 


على خطرات 5 عام الخ ب صرف اشک ذات ے 
a BULENT‏ 
كرا وى تاجو سر کردا رام ماقا سای لا سے را 
اترام کے وقت پر ہے کے اور اھ لا سے تھے دواترا می كول کل تھے ۔رسول اكرم نے اعلانفر] 
ديكو ولوك ارا كول ديل جو پر ہے کے انو رسا تال لا سے ہیں ۔اب اگوی بای لاقن موی 
ک رس لآ خود ارام ل ہوں اوہ ارام کول ديل الب يال سمو ور رام نے 
ایک تمل ارا وترم ياوه طسق الْوَِسْتَقبَلْتُ من آئری مااستدبرث مَاسْقُتُ الْهَدىَ وَلَحَلَلْتُ مَع 
۳ حین ن حو |. (بخاریڈریف رع ”ه01 
خض ررح صل یرم کے فر ای اکر یل ھی سے بحت وو ورس حال معلوم ہو ای جواب مول 
ےو مس اسن اتر بای كا جاور لاح لور بھی لوگو ںکی طرر اترام سس تك لآ تا اران عد یٹ ال 
عديث تارج ہیں: 
اَلَو عَلِمث من مر فى اول ا مث فی الاجر مایت الخ 
رتشا سبل کے واقعات پیل سے جان لیت تس اپنے سا قرب ناد جوصورت 
حال بعد می شآ بض لوک اي ہیں جتن کے پا قربا یں او تقر بان الا ہیں کم ہے 
صورت وال نك یل مزع قر بان لت - 
(۹) برک نوی یل رٹ کا ایک دددناك وات مي ل آیاوہ الل طر کے ب کافروں نے ای کافره 
ورت سے رشوت وااترت کر وعد كي مال لدت کے دو بیٹوں کے اعد مس لكر نے وا نے حا ی 
رت مام كا سكا ٹک را کارت کے ما تلا بل گے۔ چنا یسا تآ سیول نے بر دورد 
کچ اسلا مک اعلا نکیا اور رتضور اکم سا كرء کر نے ےکہ تمارک قو مرکو چاه 
کول اوراستادو ںکی ضرورت هک وه نلوق ران داسلا مکی ام دادرم وک عا ان یش 
سے ایک مدل رسول اکرم نے اپنے سات یادن قاری اورسعلم ان کے حا لک رد ےکس یک وکیا معلو مک 
دوسرے کے دل سکیا ہے ۔ و ہلوگ ا نکو نے کے اور و وکر کے ل وقاره ون رہ ان لك برد ے مقام 
رین می ا نسا ب ب کر دیا و شیب اورشن سی فا رک کچ ات کے اور را 
کہ يرف روت كردي ال ل سے ترت خی بھی تھ جو بعد مول بلا کے گئے۔ 
ال تالی نے بذ ہیر وی حضو ر کر مکی ال علیہ یل مکو لاد ایشا ے٤‏ اب ۸۶ 


لظت د سس ۱۰۳ عام ال يبصرف الك ذات ے 
مان |" لان اس وقد سے تکلمم _سمخلوم مو 7 اپ" 7 
سات لكا نار توا لدت فر ےکن قیقت ہے ےک جب ارت یس با معلوم ‏ 
تاب الثم باد یاجب جاكر يبع هلا-اى لئ علامہ بوص ر قفرا کے ول : 

سارک اللساتساخی ب مسب 
ولا نی عملےیفب ب عم 
اتل یک شان بہت بلندہ بالا جو لول بی جزل ہے اور یکی بی نیب دای كا بان لگایاجا سکم ے۔ 

(ے) حضرت ءانث بر مناشقین موف طوغان بناج سکوواقہ اک کہا جانا سے تر واق راس 
ررح ہے۔ جناب رسول اکر لایر مکو اط مع یک بی مصطلق لراك رارکت ہیں اود مد بی 
ورو لكر نے کے لج وگو ں کو عکرر سے ہیں _تضوراكرم نے ہ٢‏ عبان ههلا هسام ین 
ور ہے ایی شک یراتو م ير جد عا )کروی اور بؤمصطلن کے اموا ل اور وگول پر فک رلیاعلات صاف 
ہوگیااور جک نتم ہوگئی اب بد دنور ہک طرف وا یکی کے انا مات شرورع ہو گے ۔ وای میس ایک مقام 
ہر نے تیا مکی غکونضرت عا کشر قناۓ عاجت کے ےت ريف ےک اور جب وایل1 ںاو 
آ کب وگ تی ڈپ ار ڈحوطنے سك یں بس میں دمرل ککئی او تضورا ےکر روان ہو 
ےکم دیاش سکاو وکوانٹیانے والوں نے اٹ کر اونٹ پر لا ددا اور ىكوخيا لكك شا یاک 
حعررت عا لشم لل ود هکل رل اور ما تفر جر ۳ ۔ جب ریت ما نش متا م ر 
وای ٦‏ كم ل لون اونث تھا نہقا ف تا ور ور عضو اکر تے - عا نے سوچ اک اب تيل بر 
زادہمناسب ہے۔ جب تضور اکر مكب كرام کے "ع تافركو ورام سل بر اطلا ال نک 
ہو جا ۓگی دہ ری لش میں پر روا فر میں حك ال لے وو و ہیں پر رکش اوع رق لہ کے 
تك اي كآدى ذرافا حل ےکرک بذ کی چ زاھائ کے لئ پا کرت تھا دہ اتا سےحضرتعفوان بین 

ےآ پ مظرت ما کٹ کو و ها او بات کے اخ راو بٹھلاکرخوداون کیا مہا رباك پل 
جل دی اور قاف یک کی کي ی پات یرم نانقن نے ا سکوہوادکی اور بہت بذ اپ وین کیال سے 
ین منورہ کے سار ےلان بے عد يشان مو سے خودرسول اكرم کوان شا موک آپ نے 
سمل 20 کال ترك قیقر تلا ے حطر تگمرفار وڈ ے لو چا اورمشور وکیا مرت 
11 سے شوره لیا خضرت بر جرک پا تد یی ال سے الا تک لو چم سب خطرت عا كش 


على خطرات 5 عا الخ ب رفاک ذات ے 
كال ا ا 
رت اور اک واس ہو ےکا جوا ب دیامن بد يي منور و یش متا ان نے اسنا بڑ طوفان ميا ليا ما ابض 
لا کی اس کے شگار ہو گے تے۔ ب یکر ملی علیہ کم سے ایک دف سچد نل سب ارام 
بھی را رک اس می بھی ایک کمک ہکا مسا ہوا او رت عا کے وو دس پور ے وا ٹ ےکا 
پناس تاه مت بر اوري رگا او لچب اور تر كي تركو ل رت سبل .پچ رای 
اتون ےآ يكااطلارع کپ ےتا يج .سي ہورسے ہیں اس برعا کٹ رفك اننارويل 
كي بن ےک خطره تق موكيا برضو کر ال علیہ دم سے از ست لكر داهن کے ہاں یں 
قرب دنک يموده لپ وك ب ىكيفيت رت پچ بکرم سی اذ يولم رت ص ل 
کڑس ےک رت ریف لا سے اورحطررت عا سوواط ر تذل 

اےعا کت بارس علق ایج نی ارم ےکنا مق نريب تہارک رات ناز ل ہو جاۓے 
کرام خطامول ات کرک ياي لول ج کول بند تو يكرتا ہا اتی معافكرديا >- 
خضرت ما حطررت صد ان سس عر کی احضو کرم صلی الذدعي رو مکو جواب دی ںآ پ 

کے اکا کہ دیا عا لالب بھی جواب دسي سے ا لكا كردي ف جرخو ضرت ءالشأ طرع بو متس - 
الق تک آ پکو لتق نآ گیا ساب اکر مل یو ںک س ےتور ہو لا يك ولق نک لآ ےگا اوراگر 
ارام مول تو می قاط کرو لفات راتا سپ ہک شل #بيتصور مول مرا 
انی اد رآ پک کی شل يالى مول جوضرت اوس کے والدنے میا نکیا الہ و الله الْمُسْتَعَانُ على 
مَاتصفوّن. ۱ 

شی ج پٹ میا نکرتے +دش اس نل تست د ان ول اورمرے ےے مب ری بتر ے۔ 

ال دا پاک اد »کیره ل ایک زب تھا او تضور اکر میت تا مہ پر ینان ے 
تن جب کک تال نے یس تا ا یکپ لوم تیاور جب تا یس بکومعلومہ وگیا۔ 

چنا سول الم ایگ ہار یھر صد بی اكب كم هک ایا تك و قآ شرورع موی اور 
مودت ارك تال وت انسل دنس ع خضرت عا نکی برا تک کا الق نکر 
ال کو و ری سادی۔ 

رت عا شرس والد ین س كه ا كا عا کے لاور یکرم کار او كروو _ خضرت 
اکٹ نے فر ایام ندا ال دوقت میں نتحضور اکر لی ایل یکاش درو كل اور شآ رونو ل؟ 


ای م ۱ عا لم لغب صرف اشک زات ے 
شکربیاداکرو ںکی يلل اپنے الى رب تاکن ادا كر ہوں جنوال ےآ بان سے میری بت 
:اذ ل فر ماد اور بڈااصا نگیا- 
تبصره: ال پورے داق اکر و ھن وا نے انصاف سح ول قو اال کے ایک ایک مل 
سے وا م وا كيلم الذي بخاص غدا »د 0 
لاسام جب نز دہ سے واپہں ہوک تو حضو ر کر مکی ری یھی تس یکو رہ ۳ند 
لمعا نش تع ہی ےتک می حضوراكر سل ال علیہ یلم کے علا ودنام اولي بھی مو جور ے _ 
دوم ہک حضزت عا كش کوجوداہۓ پا رکا معلوم ن بمو سک کہ باركبال بذا سے عالائل ووخوديذى 
ولا رایز وج سول یوم ارام مین ٹیں۔ 
سوم ےک متا تان ےا طوفاان کےکچھو نے وس کار میت کی سیا یکوت موس - 
چہاام ای ما کک رسول کر می ال تیش کے باو جو وی ےہ ین هل برش 
کے دورا تابر لآ بل مس کلای کی مول - 
من فان ا طوفان مل نز بان سكول نا مناسب بم کہا تھا ان مدد فلك 
گئی۔ ی کرک مکی تیمک ات بر یا ادر ایک بای اورعا کٹ كاردنا یلا ایک جز بل 
كي كرول می سب جحلو مقن لجال ہوا چ اورظا بر طور بيمصنوكق ب يثالى کا کہا کر ہے مه 
یقت ےے: 
2 في مس تی وات 7 بروردگار 
ہ رک كويد ما بد اٹم و ازو پاور هار 
سط ۲ بر ار فق لفق پیل 
نیش م د ق ۲ 2 ق کردگار 
لب كيل مفالطہ 
ب یلوک حرا کم فیب کے معامل ہی قوامالناسں بے هارو كوأيك بڑا دوک د نے ہیں او ران 
کے نا پت خلا گی واقعه ال دج وک کا غ كار ہو ہا کے نإل اور وہ الط رح ےک یش بهت مطبرہ یل احادیٹ 
کی کتابوں یس جہاں جہاں رسول كم سل رات ہیں ولدگ انرا تكو كول سكسا ۓ ييا نے ہیں 
او کت ہیں د جحو کی احضو اکر لی ا علپیلم زرو رهم كحت ہیں يأل ؟ ریت عبار 


على خطرات 5 عا لم الفی ب صرف ال ذات سے 

جب كل يدري كرقارمو و ضور نے ان سے مان پا سك 2 ميا خضرت عبال نے 
زک یمر سے بابک یں کیا شک ہش باكر بيك اکناش رد كرس ؟اس بها ری 
عم فر ماي کک سا م انفضل ےل جوسو نا رکھا ہے اس سف یادا ردو ونر« وتيره- 

ای ررحي لوك زات کے علاوہ ول نو پت لکی ٹیش نکوئیوں ےل وکو وراد ےکی 
کش شک ست ہی ںکہدیکھو قیام تک کے فت ںکو ٹیک ری رصلی ایهم نے١‏ رع یا نکیا ے؟ نو 
عو ید کر هک یک توت وت کے ے اتال یک رف سے اک مدکی وکود یا جا نا ج- 

تو تک دحل > الو بي تك ده لكل ےجنس ط رر کرام ایک ول کل ولا ككل وکل 
ألو بي ت بل اى طر حتف لك پیش نگوئیاں بل وت ہیں علامات ألو یت یایب دای کے 
ورا کل ہیں ء اگج ز ہکواتات نوبت کے علاوہ متا صد کے لج لو گنو حرق نے بطو رز وال 
4 2 ےم رو ںکوزن وكيا کیا نکوخرااورا ہو گے؟ 

سارک اللےمَےاوٰخی بم كسب 
فيب فقها مک ینظرمیں 

اسلام فقہا كرام علا کی ایی قائل اتاو مھا عت ہے ج مایت ظتاط اریہ ے۔ رات 
تم یپھی سل کے تام وکساک رگا-2 ول ديرك سين بات سےمخلوب بوكر 
تمش 2-6 اس معترل ماع تک یی خيال ےک اكرلى آادکی یش ۹۹ علاما تکف کی نہوں اور ایک 
امال اور اسلا مک مولو تی او ہک یکو ایپ کرد ہا ایک اتا لکوت دی اک دہ کر یکذ ےم ے6 
پا الا ہا لكا داددى اک ایک احا لكام وی کافرموجا ےگا (ش کر) 

ای رع نأو ری شا ےک راگ سی سر لك وجوه سكف اال ے اورايك وج 

رلک حال بجا تی اورسف قكويا بتكو فى کے اس ایک اتا لکوت تج ول او رن کے 
حت الاوك رت بال اکرو ہش اس جان بکفکی وج بتكا تال رکفت کی لگایاجا ےکا 

تھا کرام کی اک عبار تلاق ایک وج یکی مول اكول لان شرو یت 
دی ن كاا نكا کرت ہے و اس طرر بل عقیر هل وج سے ا لواف ركبا جا گا كر جرال شل ۹۹ علامات 
اسلا مکی اور ایک علا مت ا لطر كفرل موجوومو_ضرور یا بت« هتکن تسج 


على خطبات ا عا لم الخ برف اشک ذات ے 


ra r چچجۓ‎ e چاو‎ e mh 


حرش رک زا رتا چنا روز و؛ زک اودر کارا >- 
یی قارک فرماتے ں: ‏ اِضلع ان اما بهل الْقبْلة لین تزا علَى ماهو 
من صْرُوْرِيَاتٍ الدَيْنِ. ‏ (شر‌ندالیس»۸) 
خضرت ول سنوی فر سنت ہیں او کسانیکه منکر ضروریات دين باشند از اهل قبله 
نه خواهد بود پس تکفیر ایشاں خواهد شد. ( یو اوی بای ۱۳۳ 
نی و ولوك جور ور یات د ينك كارك تے رنهاب تین ہو عت ہیں بل ا یکی جا تك - 
اس کے بعد یگ کن لفقب اكرام نعي بكا ربس یط رو ریات دين اورا م عتا ندعل 
سکیا كدي فاص خاس ال تسوا کل مان كفرح نا اس سلس می فق کرام مکی 
چت رکا رات بلا ظہوں۔- 


فأوی تا ی خان 
رجل تزوج امرأة بغير شهود فقال الرجل للمرة خدائے راو بيغمبررا گواه 


کردیم قالوا یکون کفرا لاه اعتقدان رسول الله صلی الله عليه وسلم يعلم الغيب وهو 
ماکان یعلم الغیب حين كان فى الاحيأ فکیف بعد الموت؟. (تضنانل۸۸۳) 


یی یش نے اق رگا موں کے ای ككودت ےار ليا اود بوذت مکاح گور تکو یو ں کہ اکم ار 
تیا اوررسول ال كوكوا ينا ست ہیں فقه اكرام نے فر مایا کا لن کا یکنا اکفر ے کوت ای نے اتاد 
کر لا ےک ہآ خضل تیب جات ل عا لاک ہآپ زندگی مم غی بل جات ےا وفات کے بجر بعلا 
فی بکیے جات ہیں؟ 

أو نا نا رعاش 
وج اة الله رسوله نع کاخ ویگذر لا اده أن الي صلی الله 
له سل یلم لغب . رتانارخانیه ) 

2 0 نے ایداوراس کے رسو لک وواوق ر ارد ےک كار کیا و زارح مرن ہوگا اور وم کار 

ہو جا ميركل قير ركنا ےک حضو راکم فيب چا ول - 


على خطرات . ۰۸ عا )الخ برف اش زات ے 
جارخا ط كا فو ی 
إن زغم أن الي صَلی الله عليه للم الب َر فما نک بعر 
۱ (جوهر اخلاطیه) 
رکش یر دو کر ےکن كريب جا سن ہیں وو ون كاف رمو جا ةك لک دوسرے کے 
لق رقي رو رک وال یراگنا 
اتا ری!! 
در اه تضرنحا تفر یادن ای صَلّى الله علیہ سمل 
( شرح فقهه اکبر ص ۸۵ اومساهره ج۲) 


ای قا رک فرت می ںکیفتہاءااف نے اس با تک تر کل ےک رش يكقيدو ركنا > 
کن یکر سی ال علیہ یلم عالمالغیب تھے ون لکافرے۔ 
قاری مز کت ول !! 


و 
الغيب. 


قد صرح علَمَءُ ال بتکفیر من اعد ان ای صَلّى الله له سل عل لب 
۱ (شرح شفاء) 
تج اش !! 
ای شا الصاح غر رآ اودب بإب ےی عام ول دہ ایت کاب الا بر شک ون - 
اکر کے بدو نود نكا كرد کشت خداورسول غرا راكوا كردم پا فرشت راكوا كردمكا فرشو زال بل ۱ء٤‏ 
2 2 ن ےگواہوں کے اي ا كا اود کبک یل نے الد اورا ی کے رسو لکو پا فرش کو 
اناد كاف ہو جا ۓگا_ 
ارشاد ال ان اکن ےکہد ے درل امل بات وا دہ کا فرہوجااے۔ 
(ارشادالطانگ٢۲)‏ 
انب رات علادہ دی تھا کرام رین عظامماورمفتیا نکرا مکی بہت ارات موجود ہیں ممل 
نے بطو رمو جنر ہی کر ری ول بک اف كرنا وار ان عبارات مان 27ھ اسلا مم 
ستل مشکل س>_اورلتنا خطرنا اک ےاورآ یکل کے ائل بدعت نے ا وتا سان اورکتی مول ب 


“ی خطبات' ۹ عام الفیب‌صر ف‌اشک زات ے 
ریات ےھ رول یکا الت ای ےسا سے با نکر کرک کے ابا نوک در ے ہیں اورغدات 
نی ڈرتے ہیں او رک دردمن ھا نے کے لے با کر ع فور کچ ہیں الاب رک » 
متاخ سول اون اسلام سے رسكت م یبال« شال کی بات ئیں جم رآ یک یکول 
رن مو جرد ین الام سك أ لنش ےہٹ رہ ہواوراپ ےآ پل ود بو معا 5 
رسول ہیں؟۔ ٹر مت را پیم 2 رن بعد کسے ماش ہو گے نی نے کے کہا 

تعسصی ال وضو زان نفهر مم 
فلت رق‌نی لب عل نبنغ 
ن یکر مکی تالف تکرتے مو سك حبتكا عظا بره مود ا وا ہب رک م میا یک الا انداز سب - 
رک ن حبك مدق اطفته 
ارت ری ہت وا مول ہپ تضوراکرم کی اطاع تک ےکرک ماش ا ےر ں6 تاب عدارہوتاے۔ 
يلاق > 
م د بی بمب اے ا ال 
كس راو کر لو مرول بنرلتان است 
اےدیا ی !کے ند ةكلم کیک یں ےکم کرات پر جار ہے ہو بی لا ن کرات ج- 
گے له ۲ 
2 يج مس می رائر 7 پروردگار 
ہر کہ كوير مابرائم 7 ازوپاور هار 
صل پر ر گفق ار 9 ربیل 
کش م شق م فق كور 
تبسارک اللا مسازخی بشکتسب 
کو !! 
اکرکوئ یکا سي كحضو راکرس کی الڈرعلیہ ول مکووی سے يكيل سسب یی لوق وول حال وی 


0 0 _ لے ا باب فا لیے 
کا ارح ےنس سے و كاف روجا ےگا اور اکر تا ہک چیه وش تھا نہ نے وق سے لا از 
لويم 

مصنوگی من ظر ۵ 

5 وی اور ایک ولو بر یکا ایک مصنوگ تصورالی مزا رہ بھی مدل ضرمت ہے نس سے 
مرف بک قیقت ب رک بل اوراس مس لكوت عش مروتو اق سے ین ره يول یر 
اک پل عق ہے اوردی ہنی عالم بر يلوى عالم سے ہوا كرتا ہے اور رکه جاب دتا 
اور یچ را جواب وجا باس 
دا بندى: كم بر يلوى صاح ب فيب کے می سآ يكاكياعقيده ے؟ 
ير يموق : جناب هیر اتید ےک ماکان دما ول ذروذ ر ہکا طخي بتضوراکرم رورس مکوحڑاصل ہے۔ 
دل یندگی: کیا قد وباق انیا كرام کے تح قبھ ىآ ب کت يا یک رم سكسا تجدخاص ہے؟ 

م يلوك مادا قير فور فو ریک مرو متام انیا ءکرا مکوکھی عام اليب مك ہیں م 
س بکا عقیردے۔ 

دل ہندگی: کیان یاکرام سای کل کے لپ رات الغ بکا رقيره رک ہیں ؟ 

ب یگی: گی ہاں تم اولیاءاللہ مذ ركان دين بان جراد ہرچی دنق کے ےکی بكاعقيره رک تن 
A‏ 

دي :یب کیا ز؟ ا تسار یآ پ کے - 

بریوکی: «جزآبلاظري آل ے ی آ پک ٦‏ ول سے ماب ہے اورال کے حا ںآ پک 
بو جا ب یم گیب ہے۔ 

د ندی: آپ یل ہن تلاہج تام فی بک یں کی پیل سے۔ 

ریو ور ارم نے تام تم کآنے وانے واقعا تا جو كروكيا سے پالم برخ که 
تا یی حش راود جن ودوز غ كل بال بیس بح فیب ہیں 

دلو بدك کاپ ےتا اک کیک فیب جات مہ لک ینوا سکااقرار ے؟ 
وک شا خی فی ب کدی کرت ہو ںآ پ مج كنيب دان كت نل ؟ 

دي ہندگی: کیا آ پک علوم می لک راز موجود مزان اعما لكش میس بوک لوک مرا نکر 


عل خطبات 1 عا مال ب صرف اش زات > 


گے ہوں کے ,لبر لکافرول کے لئ افدسے موس كنا ہکا رمسلمانوں يرقب ریس ع اب مسلط وگ قمر 
ا کے سے کک اب ےکی اود من کے لے جن کاب چ ب ےکی جن تك طرف ای لكر کول 
پھر جدنع میس مؤین کے لئ فلا ں فلا تین ہو كل اوركافر کے لئ دوز شل فلا ل فلا ں عاب ہوگا۔ 
تیا مت سے یرت ہدک يل کے پر حضرت ےئ 1 میں دیا لک نون ہوگا دابة الارض 
كبك يمري جور ا جور 1 میں گے پچ رک كلك زلا لآ میس ے؟ 
لوی: یچز مق بی ہیں ا کات :لوت م سے اوراس كوا تح ہو نے ب ہماراایان ہے۔ 
رلوبتری: سار جز ب و دہہیں جوف نی لی ہی ”حوس ےبھی نا عب ہیں کی راس کے علوم ہونے 
سے پی ھآ پکیوں ما الف بی ہوے ؟ 
بر یلڑکی: ماش ے ان چزوں کے جا سے سے عالم لغيبش ہو هگب چز م الیو ہضور 
نو راج مت ہعطق صلی اون علیہ یلم سخ صھا کو تا لارنج لولس حا نكو 
027 
رلوبنری: سآ پ سے ون کران باتو ںی حضو ر ہرم کو ےہوا؟ 
9--- یں اد یی ۔ 
دلو بتدى: جب اللہ تھا لی نے تضوراکرم کو ىہ چیم ينا ہیں فو حضو رارم عالم اليب ہو گے اور جب 
حضو راکم ف یہی پا ابن اق یکو جا تو اس کیوں عام اليبس ہنی آ خر جتانے می كي ر 
جا کرای کیک مالغیب ہ دوسرکی لی ۔ 
پر بلی: اروت یآ پ نے یجھے جیب انداز سے ھا دیاب بات می رکا کے سآ کی میس و كرجا مول یا 
ال می ریت .اب ذو اشعاركق مرک بک سآ کے جوآب پاد بادد ہراتے د ےکہ 

في س ھی داند مز بروردگار 

ہرک كوي اراتم تو ازو ياود هار 

مصمطغ ۳ کر كفق م ركفق 22 

ولاش م ر فق م د گفق کرو کر 

شتا لوح عقيد وك نلک عطافرماۓے ۔آ من ۔ 


لات _ ال کے 
ھ ین جائ سهد مک دو ڈکراتی 


يت سكت صخ 


e 
موضوع‎ 
ستل ماضرواظر‎ 
الان ارم‎ 

نمه وينه و من بت له نف الله من رور اتا وین 
میات امالا من یله قلا مضل له وم یله فلا هاوی لَه وَنَشْهَدُ آن لاا له إل 
الله وَحْدَهُ لا شریک له لا مثل له ولا منال له ولامییل له لا ند له ولا ضد له ولا نظبر له 
اون له ولا موین له ولا مُشِيْر له ونشه1 أن سید نا وسدنا وخجیناوخییب ربا 
محمد عبده وله صلی الله تعلی له وعلی اله و آصْحَابهِالَِّيْنَ هُمْ خلاصة 
رب الرباء خر الخلابق بعد اانا . 

۳۹ 
مه وسْطا لكر نوا شْهَدَاءَ علی الناس ويون ارول عم شهیذا ره ۳۳ 

اورا کی ررح تم ذم وتا ممت مناد ی ہا ام لوگوں يركواه بنواوررسو لم باه بے - 

فا عليه السلام زان اسا م آصْحَابى بخ بهم ات اليَمَالِ فقول 
قال اليد الصالح و كنت عََيْهِمْ دنت فیهم فَلما تو یی کنت انت اقب 
عَلَيْهمُ وَانت على کل شیء شَهِيْدٌ. (مائده > ۱۱) 

كر محطرات !! 

ال سے ييل لس یکر مم کے مالم الغیب ہونے د و تخل یآ سر فصل 
سے عورف کیا تا کم ایب کے ای ستل سے متا جا دوسا ستل انیا وكرام اور دم اولي وكرام کے اضر 
وناظرمو ل تعلق ہے۔ ان دوفوں کاو كو ٹیل نے ال لے پچھیٹرا ےک نہ یت خطرنا اکسا ا 
می سے ہیں اورگوام انا ی اس میس بے اطي کر تے ہیں ایک طرف وام ا یکو یکرم عقيدت 


بات r‏ معا رو نانم 
بحبت کا ذر له بت ہیں اور ان مار ےطان ان كتالح بی علاء دور ازكار ولا اور سر 
وهات اور تلط اتا دات سے یغاب تک ےک لو کر ست عاض رون کا قیره ركم مان کل 
لے ضروری اور لدان »و نشالى سب-دوسری‌طر فت رن نما لکقیر وال ب تش جاح 
ے۔ احادیث مق دسا عقيرة ما ضر نا ظ رکو اتکی تم خاش ينال سے۔فقہا کرام اور عتا دکی 
کن ہیں ما ضر ونا تر کےمقید هلو اٹہ تھا یکیہ ت خا كرف ہیں اور اڈ تی فی کے واک او رکو حاضروناظر 
ا سے وا وکا فراورم رن رار ہیں۔ 
اب ہال دبا ل ڑل ے بے جا حقیرت رحبت اور ے جا عنم تک دجم تکقیره عاض رونا ظرکو 
ان اکرش رآن وعد یث داجمَاں امت لنظرانرازكر ک ےکف رفظ ےکا رکا بكرن وكا لور یا رن وصد یٹ 
اورا ما ام تکوا نارمع غ رہ کے ان هط ےل وش کو برداش تك رن ہوگا _<قيققت ہے ےک اب 
تی تیا رر مريت مقد سک الا کرتے ہو ےعوام کو رات ب لاس کش کر سے ہیں اگ راس قل 
نيد كد كنات ا سلا م می مول تو ان علا کے لئے ال کے اپنانے شل دیس ےکی ضرور کی کی ؟ 
جوعلا ہر پا کا مقاب کر تے ہیں جا نک باذك لگاتے ہیں تیصو جو ون کے ے پرواش یکر ے 
ہیں محاشرہ ےکر لين کے کے مصا يب جحت ہیں ان کے ے ےکی مشكل تیک ز بان سے اعلا نکر تے 
کو راکم ریما ضر ناظ ہیں ره زر هکم رھت ہیں ماکان وا يكو نکم کت ہیں اک ےکا م 
ای بھی خوش ہو جاتے اورائل برعت کے مطائ کا سل کی م ہو جا تا ین اس سے ق رآ م و 
احاد یٹ مق ر اورفقہا رم ہو اج او تال اوررسول اکرم نار ہو جات »صرف اس بور یکی وج 
Ye‏ تن تام ہیں - اب درد ےک رآ نيم كيده عاضر ونا کوک ررح ال تھا 


کیا تھ فا کرت ہے اورغی رای ےم ںط رن یکرت ہے۔ 
بر حا ضرونا ظرصرف الثرل ذاش 
(ء «وللیغلم انرون مان 
تال انتا ے جو بكوم چا مواد جوا مرك 2و 2 <سیرکل»0) 


)۲( ایکون من وی لو إا زانهم ولا نب افو ایهم ولا نی ين : 
ذالک ولا اکر الا هر مه مَعَهُمُ ان ما انوا ڈ هب بلتم یمه نله بل 
شیء علیم . ( مجادله ع) 


على خطات ۳ ستل ما ضروزظر 
زفي ہوا ےمشور وی نک چہاں اڈ ہوجاان میس چو ار نپا جک مشوره وت ہے ان شلک شا 
ها اور تال كاورش یاد وکروہ ہوتاہے ان کےساتھھ جہا نہیں يمول پچ رقیامت کے دن ا نوت 
ادن کی کف لالج 
شیر !! 
صرف ان اعمال بی کی تحص رسے :اللہ ےم عل نہ آسمان وذ شی نکی رل دک چر 
کولس را ارو مشو ريل جہاں اچ ی مود ہہ جال ین 
آر تچ کر شور ہکرت (ووی)ن ھی کول قن ام پاک لش خيال نکر ےک 
کوج قوس ۔خو تن ول انل سیب ہو ں کی عالت می ہوں 
شتا را چنیا کیا تھ هک وت ان سے بل ۔ (قفیر نا ص۴ ) 
ف ( للم مان له یلم سر هم وَنَجْوھُم وان الله علام الب (توبه ایت ۸) 
کیا ووس چا کہ اٹہ تتا ان کی اوران کے خفیهشورو کو چا تتا ے اور اتال ی خوب جاتنا > 
سب یی باتو ںکو- 
(۹) - هاميَحْسَبْوْنَ انالا نسمع سرهم ونجواهم6» (زخرف ۸۰) 
كياخيال دكت و ںک کل جات ہیں ا نک ہیر اورا نكا شور م _ 
(4) «وفوالل؛فیالشموات وَفِى لضعم یر کم جر کم ریم 
مَالکببرن (انعام ۳) 
موی ج لال مل ہے اورز من شل ہے دہ چا نت سپ ہار اکل اور تجگ مك2 ہو۔ 
٦‏ مرو د۔ھ oa‏ 1 سق 
00 وان تخهزباقزل فان عم الب وَاخفى © رطع 
4 ایروا قولحم آرجهرژ بل عم بات در رمدى م 
۸ او لا تعلو ]۶ الله ماه مه شر ہے وو ءي 
)^( الا یغلمون انال بعلم میرن ومَا نزن 4 (بقروےے) 
ايه ےھ و ہوا( ۔ھ ور ۔۔ وو لور 1 
)8( لا جرم ان ال يعم مرون وم نزن 4 (نحل ۲۳) 
+ | ۱ يون خم مو ضس ر7 ا ہے و وا 
249 لا جين يستغشون انهم یغلم ما يرون وما يلون زهودة) 


ات ل 12 مت عاض رونا 
را ) الم اليب لا یرب عنه متقال دة فی السُملواتِ ولا فى لاض ولا َضغر 
٩ 77-0‏ سم 
ان تما مآ یات سے اورا نکیا تھا یر سے یہ بات روز رؤش نکی طرں وا ہا س ےک عاضر 
وناظرصرف ابش رتا یکی ذات ے اود الث رتهالى سكسو اكول اور ی اسک کل ےکہدہ مر چگ ما رونا ر ہو 
اور ری ل ہو۔ می انآ یات کے سے او تفاس لک کرک کیو علا حط راح اور 
کرام خووتر جم وی واقّف ہیں ابی طرع ان تا مآیا کوک غ کک رکا داف تال کے عاضر 
وتار مو ندال ول -کوگ يرآيات بہت زیادہ ڑا ہس _ نماض شکرسورت لوس بہت ا؟ م ہے گر ترآ نرم 
میس ایکفآیت ےج بار بارا آل سور وحش ريل ووا س‌ظر ٦‏ لا 
رال لی لالہ إا هو علم الَْيْبٍ َالشهادة هو رم لحم 
ووائل ےجس کے موا یکی بن دک یں » جاننا ے جو بشید ہے اور جوظاہر ہے دہ یڑ امہ ربا نر والا ے۔ 
بآ یت جلف الفاظ ےق رآ ن مش ہار بارآ ے یل ينال ےک عا م اليب اورعاضر 
وناظرصرف ایک ال زات ے۔ 
سارک اللەمارحىبمكتسب 
ولانبىعلى غ ببمتهم 
مل بی بے أ غيب دا كا بتان ای ہا کاے۔ 


نہ یکر کی ال علیہ کم رگ عا رونا رئيس 
رآ ن نی کی جنداء یآ یا ت بھی لاحظ افر يل جل مس وا ع طور ير رق موجود ہ ےک نی 
کر لہ حا ضرونا رل تاور يشان صرف انش تدا یک س کد ورھگ حاضروناظرے۔ 
e‏ ہم ۴ هو 
(ا) کو وطو ری مغل جائب می سب نہ ے 
وما کت بجالب بیس إلى مُوْسى ما كك من لین قصص م 
يش أو رطور لغرب 1 ہاب چاں حفر موی" کونہوت اوراؤرات أب وال شك اور ہآپد 3 
والوں له بل نلا 70 ہے ج بآ پ وال یرہ جور وا ل کےسوااو رک کہا ہا کک ج ريسب با يكو 


على خطرات ذا مس حا رونام 
ا ی 
ووالتہ تار اےں سكسا حبرا مب مار ہاور جوا ےکم کے نتب سے پر حاضروناظر ہے۔ 
ہے ۴ مه 
٢ (‏ )ر إن ںآ ب ورن سے 
رما کنت فَاوِيَافى آهل مین ترا َيه این ولکنا كنا مُرْسِلِيْنَ رقصص دم 
شیپ مین والوں کے پال کل کہا نک مار ی عل بذ سنا ے ”يقتي 
کی ک تی ہیں جا لوه دياو الو لو اوھ کیک داتعت سناس ےآ ےکوی ات قاعدہ کے 
کت سول ,ناکسا وام کے کر تآ موز وا لحعات ان کے سا سے با نکر کے ا نک وق تفلت ے 
دار ؛ ظا ہر ےآ پآ وال جو دن تيان بیاننظھام جن ےکیاکروگی کےذر یہ سے دوواقات لا 
دعس مو جودولوکو ںکی ہریت کے لے اورآ پک رسالت کے ےکن سا مان ے۔ 
1 ۱ مھ ہم ۴ oe‏ 
(۳) کووطور مناجات کے وق تآ ياد لك 
ما کت بجانب الطُور ان اکن رَحْمَة من رتك ,قصص »م 
“جح بمو" کر وازدی ای آنا ا رب ال آپ وبال سناش 
رہے تتے بک ےق تدا یک انا کرک سول با او وی کے زر لی ہآ پکوان واقعات ملع كا 
ہآ الن داتعات سے مو جود لوكو لكوت د كبروسنذ ميسنا سے شا ید تحت قو لكر ی _ 
“i » ۰‏ مو ينبم 1 مه 
(۳) رصاندازی کے ون تآب نے 
ذالک من اء الب نويه الک وما كنت همان الامهم ی 
یکفل مریم ما كنت لَدَيْهمُ إذْيَحْتصِمُوْنَ 4. ال عمران 66) 
تب کن یں تلم 2 إل ادر دقان کے يجب (ترء کے لے ) ڈالے كو 
ابچ رم موکوان برل مل نے اور قان کے پاک جب وو( امل موا ) 2 
جب رت رن قو ل کہ لارنج مکی كك رش 
ل رکھا جائ ےآ غ مت ادا کاب تفر مرت زكري کے نام کل - 
تفارک حثیت سح آي" هب الئل یه سح لکنا کول حعبت 


سے 7۳ متلیاضرونظر 
ہیں ری جن سے واقعات اضيرك ا الک ققق معلو مات ہیں اورصحیت ریت بھی نکی تو و ولک فو ی 
ورام وخرافا تک اندع يول جس پڑے پلک ر ہے هک نے عداوت شل اور سدع ےزیادہ 
یت کر داقا کو سخ کررکھا تھا۔ اند دک گھوں رشق عاصل ہو ےک يت تع من 
تھی ادد يبل عالات »ند فی ورگ دوفو مکی سورتوں مس ان واقداتآوا یکت اور سط وتیل ے 
سنا نا جو ب سے :رین مكنا بتک حون میں کا چون رکرد يل او کال امار بای ند سے ۔ میا 
ككل مل کدی پکو یلم د گیا ھا يوك لآب سے تع خودان مالا کا محا کیا اورنہ 
م سل کر اک شا ریپ پاس موجودتھا۔ (تضی نال اے) 
برادران لوست کے پا لآ پاش 2 
الک من آنباء الب لُوْحِيه الیک وَمَا كنت لبهم اذ أَجْمَعْوَآمْرَهُمْ وَهُمْ 
يَمْكْرُونَ 4 (يوسف ۱۰۳) 
یط بك ری ہیں جوہم ترس باک کی ہیں ار ان کے پا موجووکیس تھا جب وہ انا وب 
نانے کار جبک/رنے گے۔ 
شیم 
بج براوران لوسف جب ا نآو پاپ سے جد ا كرح او رکوس ٹیس دا 2 کے مشور اور 
یر لاب 12 پ ان با لت كدر کہا کی با س سنت ادر حالا کا معا کے 
پرا لے داقمات گزز وی الى ے٦‏ پل تا ؟ سر طور ير باح كلمت هی نابرق 
ملم سےاستذاد کی وہک پر نک اس ق قصل پل می بھی اند کے سوا 
کس معو مرا ی (ف رخ الى ماس ) 
طوفان نور کے واقعرد لآ پ کیل ے 
سورت مول اتیل فور کی دكات اور سيك قوم سلا زا رک فيل سےت كر وف ايالور 
رطفن ور" دش فورح" کا ذکرفر مایا پاپ اور ہی ےکا انف لکیااو مرک را یکا پر رل 
ایک یک ریم کور ای کا لود واقہی ]سكل ے مہ بز نوق مس هآ پ کک باچچادیا- 
چنانارشاد با ری ال ے: 


على خطبات ۱۸ سلما رونام 

رھ یلک من انبآء لب وْحِيْهإليِكَ ما کنت تَعلَمُهَاانتٌ ولا آزمک 
مِنْ قَبْلٍ هذا فاضبر ان لْعَاقِبَةَ من 4 (هرد٩‏ ۲) 

با مغ بک رول عل سے ہیں جوا وی کے ذد ل ےآ پک نے ہیں ال سے يكل نآ پکوال 
کی خی ادر دآ يك ق موا کنر ,اب مب رک انر تاف ےڈ ر کے والوں سک ہج امام ہے۔ 
سا قہاقوا مکی بات کے وف تآ پ حاضرنہ ے 

الہ ارک وتا نے ق رآ نیم میس سابقہ اق ام کے قصے بیان رما ہیں اور پچ را نکی ای 
اوران کے شرو نک بر اد كتفصيلات بیا نکر نے کے !عدف اک بی سب موس برد قعات »لآ پار 
تار باہو ںآ پ ان واقعات يل عاض رنہ تے۔ ان واتعات ے تم لك ضور اکم پر عاضر 
وناظرت تے ورنان واقعات مج لآپ کے وجوداورعاض روه كل اتال دقر یکی جا کاپ 
خودوپال پر تھے اورآپ نے این گمون سے سب يد كسا تھا ایآ ما ضرویاظر ےا سس کے بكس 
ال تھا ی نے بيعلا دي كبيسا بق وا تات اورشهرو لك تان یآ يكو بذ د لجروق بتار پا ہو للا آپ 
میرے تہ ہیں ای طرف ےکی رک طرف سے ارہ ہو چا رارشاد ے: 
(1) « ذلك من نبآء لقری نفصه علیک مها لبم وَحَصِيْد 4‏ رد٠‏ ) 
(ے «وکلانقص غلیک بن باء الرسُل ما نت به اک وَجَآءَ ک فى هذه 
لح وَمَوْعِظَة ذ کری لِلْمُرْضِيْنَ4 ١‏ ود۲۰» 
(۸) ( کنللک تفص غلبک من اء ما دَق رذ نینک من را رهم 
(۹) و یلک الفری تفص غلبک بن نارق جاء هم رهم بيست عرف ٠٠٠‏ 

انیم رای حاضرونا رنہ ے 

ال برعت حطرات کے ہا واولا ,ارگ عاض رونا رو 2 ہیں او رای وچ سے وو شورفم 
ہوراولیا ,شا فا مماضاجات شل ر سے ہیں ءا نک ییون خواو و لکیس ہوں بان 
حول نيالك پکار نے کے بہت ساارے وا رو جود ہیں۔ال لئ ىہ بات وان اود ههار سک 
برعت سك بال انیا ءکرامکو اض رونا راور ام خی بک مقام بعالت بی م صل ےتآ ایک نف 


ات ۹ سلما ضر ونار 
ال برعت او رال شر ککا عقي د وو ظا فاط ریس اوردوسر طرف رف آیات اورواقدا کوک بص 
می صرح طور بابي كرام کے حاضروناظراور الم الغييب ہو ےکی مول ے۔ چنر وتات ملاظ ہوں_ 
(۱) تا انبم علي السلا مک وات 

رآ مم کی با رقم د برای گیا ےک صرت ایرام کے بای چندفر شح مول 
برل امدق اناف صورت مم سے تأت نے ا کو ہمان اور انا نک ےکر میز ,الى کی اط ران 
کے 2 چا رک کیا او بجو نکر ان کے سا رما سلا مكلام او رکھانا سا سے ربكت کے بوجوو 
خضرت ابرا تم نے ا نکوانسان بی ھا اورا ب کک معلوم تہ ہو کاکہ ريفر څح ہیں اگ رح رت ابرا کم 
عام الغييب اور حاضر وناظر ہو تے لو جب سے پر څح آعان سے روات موس تے اى وت ے 
حخرت ا برا لی بھی اترات ہو تے اور بھی ان سےخوف ز دو نہ ہو تے اورتہان کے لے چا 
و کر کے ان کے سا شت رھت »اک ط رب م ماک جا جا ےک ایا ت نے پا سے رت 
کی سرحل کے اورو رال سے ہوتے و أرون فسطين يع سكت برو بال اب ۓےگھ روا لو لو کر 
ححقرت باجو ارت اس ات کیسا تھے مقہتش ریف لا سے اور سمل وق فو قا بھی شا م1 ست 
110101111111010 
معلوم ہوا اضر نارکا خقید الام سب لي ں کیا ا بلدا ملام کے بببت سا ر سے احکا مات اور کہت 
سارى نو کا ال فکقیدہ سے ۔ 

(۲) حطرتلوماعلی السلا مكاواقهم 

رآ نكري یں ستعرومقاءات حطر ت لو" کے تخلق ایک قضہ ما نکیا گیا ےک ہآسمان سے 
فرشت آ سح اورنظرت ابرائي کے پل ری سنا كرسيد_عتطضرت لوم" سك پاچ کے اورنهايت فو 
صورتااوں كك لكل مس وک وار ہو ع _ رت لو کی قوم عرض لواطت یس ہنی ولگ دو كر سے 
اور ہمانوں سے ریک مطال کیا حر علوم" بہت ب ريثا ہو گے اورعا 7 کی ےق ماود 
گھ رم کو کرم ہالوں ب تی ڈالنا چا ہا ب فرشتو نے با کہم انا نس فر ہیں اگ رحضرت لوط 
عاضروناظ رمو ے7 آ ان ے ات ے وقت ا نکومعلوم ہوجا جکرفرشت آر ج ہیں نيز بک رترت ایرام 
کے ہاں معلوم ہوا کف رشع ہیں رن ےک میس اتن دريل نے سےمعلوم ہو اتاک ی شنے ا 
معلوم وک بر اون سكعت تدق رآن سكسراسرمنالى ہیں اورحاضروناظرصرف تال ل ات 


۳۰ معا رونم 


ی فطیات دن سس سا 
© حم رس یتقو بعلي السلا مکاواقحہ 
رآ نکریم میں مرت بیس کاققہ ارت لفقو کات ایک ہک سور تك ورس 
یس اوفدتعالی نے بیان فر ایا ے ۔کئی سالول تل واتعہ ےکی سال کک ایک یکا فرزن رکم ہے وت 
كن سے روس ےک موك نكال ضا ہیی ہیں وشام رونا و راون نایم نوگی ںہ 
نیس تھا كول مصنو یکیل تھا۔ بل متت د رک ما مکی صد يرث كل حمطا لل ۴ سال کک الم وم اورفراق 
وجدائی سے رال ل دا رپ ما رونا تل ري بکنعان کول بی حضرت اوس تر 
کیوں نہد یکھا؟ يرع زم کےگھ راورز لیا ےتا م واقعات رفملا ت کے وق تكول دا رجحب 
وذ بے اس وق تکیوں ند یا یھر جب مع رکا با دشا ہن اش وق خضرت عقو س ان کے يا لول 
د ؟ ا رآپ حاضرو نار ےق ان تام ما تست ہکیوں نہ تك اورمعلو مکیوں تھا یمر جب ول 
سك ذ ديس شتا نے باو يا تب معلوم ہوا۔الن وا قعات ے روز رش نکیا رح ہے بات وا ۳۹2 
ےک ب یلو كا عقيده بش ہے ج رآ نیم کے مرا رمتا ہے۔ 
(r)‏ ححضرت موی علي السلا مکاواقعہ 
حر ت وک علي السلا ماقو کیب لک فی لق رآ نشی مکی سور تكبف میں ے۔ 
خلاصہ یہ ےکرحفرت موی صو لع مکی فض سے م راون دک می رین میس ارک يندم را حطر ت خر 
کی طرف روات ہو گے طورعلات ای ککی مو لیس دل کیل مال زنده»وما دلا 
ینہ دا سے ےکا نحخرت موی اپے خاد کیا تخد امل طول سف روان ہو چاتے ہیں را سے می ایک 
امس ہیں دہ جل ہیں پر زند ہوک رن رر جلا کک كر يل ما ے۔حخرت موی اخ 
ماس پل پت ہیں راسپ سان سے بوجت ہی کی( ش کر ے ہیں ا 
کویادآ ماح اه تارمن لور را ےب 
ای لم پا می اقا رال ات ققدم کی ریک ای بل گے جهال سح ع وانا؟ 
حر تخر سے لا قات .تن رت 55 3 
امو سى یی على من لم له له تمه الت, وانت على عمس 
علم الله غلمک الله لا أَغْلَمُهُ . 


و 
5 


(بخاری شريف ج ۲ص 1۸۸) 


می‌فطبات 0 ۱۳۱ معلیاضرونظر 

یق ےم وی تك f nS‏ 

كلل نایک پچڑ یآ کی اوردریا ایک قطره يال چو کیا خط ررح خر نے فالا ا سے وی مرا 
تیالو قیکاعکم اش نهل سكم ہت ا طررع ےج سط مع رکا ی اور چ کی چو كاي قر ۳ 

الل سك اهر وو كا سف شورع کی صرت خر نے سیکا أي تخت اكير دصرت موی نے 
تا کی رف رت خط ر ای خوبصورتلڑ کےکو كرد ياس یرت موك" نے اترا كي هر 
تعفر تفع سیک ول تو مکی د رلوسيد ھا كرد ياس بیترت موی نے اتکی و ونوا 
کی جدائی ہوئی۔ 

اب ارت موی“ حاضروناظر ے عام اليب تخت معلومكر نے کے ملس 
باس کیا ضرور تھی را چگ ہے۲ کول لے جہاں دو بندہ خدا موجودتھ پچ می کے چگ 
نے اور لے جا كا ضرت موی وكيو لم نہ ہوا؟ کرای بن رہ خا لوق ارات عم 
بت یا نکی ا لک یک یاضرورتیٹھی دوفول حاض نظ راورعالم بما کان وا کون ے؟ پگ یڑ ےب 
اورا کے کل اور یوار درس تک نے پر پے در سرت موی" نے ا ختراضا تکیوں ے٤٣‏ رت 
مارو نار تھے ارک جز بل ان کے سام ادرا ب می بول جا یق کن ا نہیں ور 
ہوا عقر دی ے جوت رن نے یا نیارب كا جتقيروعاضرو نالعا مالغ بکا سيق رآن 
ےتال فک راہ كقيره ے وال امت میں بر یلدیوں اور رای ل سكعلاه ول ىكيل سے بیو ره 
ہو گے ہیں اورغلط واد يول شل سرگردان برد ہے ہیں۔ 

رم د بی بجر اے ای 
كس راہ کر تزی روی بتركتان است 
2 حشرت سلما علي السلا مکاواقعہ 

حطر ت ليما کا یق بھی ترآ ن یم مس مترو ھول ب او سج تلكا غلا ع ہ ےک 
حطر یسلا نومت ارک شا امس جوہوائول پگ ردول نول »درندول پراور جنات و 
ول بيك وق تآ بكوم تق ,بل دف برب ضرورت سمو باب تھا۔ نر سلبان 
نے اس ںکوتلاش شکیا كرو لا پ کیا یک اکر يديد نے ممتقول ع ريلك لكيا قشل الوذ 
کر کےسزادو گا سے می بد پآ گیا او رکشل ملک سپا س آر اہول اورمیرے يال دورس جد 


على خطبات rr‏ سلطا شر ونار 

أ وى موم تن اور دہ ہے هكم وبال ای ورت سال ل لومت ےکت چان د کے 
يكن لاگ رک ہیں سودي کو وچ ہیں اورقورت مر براومکلت ے ۔حضرت سلبان راک 
معلو مكيل نے سا سے يا جحوث بولا ے اس لے تقيقت علوم کر نے کے ےم بے خط سک جا اورال 
ود تک .پر ود خط کي اور پال ووعورت لمران ہوک حر یمان کے تاب موی ۔ 

القت سے برذ ی کل ان هک ےک ہاگ حطر ت سمل عاضرون ر اور عام یب 
و2 نو یتیس اوراس دس تک آ پک پیل سس معلوم وتا ار ره سكا سک پکرمیرے يال 
اسک مر ے واب کے بالكل جواب د سے کہ ے اد بارخ میس أو وال پر اضر وناظ تھا مک 
وا سکرتے ہو معلوم موا كد مار ونا ت رکا عقیدہ جن وگول نے اپ طرف ےک لیا ے۔ دولر 
صرف پی ٹک غر ے نا جا كك يردوكان چ کر چلا رہ ل -ورتران کےعقیر سکن رن 
سے ہن حدیث سے هت ا مان امت سے سے 7 


تم د بی ب مہ اله ال 


یں راو کے ول رول بتر كان است 
)0( رت واو رمل اللا مک وات 

جخرت دا کا ایک قض رق رآ نکر کم نے ذک کیا ےکا نک عبادت کے ناش اوقارت می دو 
سے وان ےتا م اتی انبا تک ارآ اور کیو ےکر جل گے _حطرت دا 
شل پت نی نہ لا کر قض ہکیاے بابرا کیاے۔ ی کون ہیں اورک مقصر سك ےکس طر را را 
ہیں بح دشل پت اكد یت کی کے ل٤‏ فرش آ سے تھے اگ رآپ مار ونا ظربو_ و ان فرشتو كوابترى 
سے پان لے ادر حارم ہوجا ت کیال ےکس او کیو لآ ہیں اورا نكا مقصركيا ےکک 
مارا راد تی وتا ے جو اھ وتا ے۔ ۱ 

مرت راوركا ایک اورواتری ہے جو اعادی ٹک کول سعد ہارکی ومسل مس 
ایک عد ی ہے بن لک وم داص ال رر ےکہ با ام اتل یس دور أيل سیر« 
وور ی وع ری دولل کے پاک کے كايا تک ھیٹر یا آیالو دع رسید كاد نار ٹےگیا۔ ای ےو 
کرت ےہا کچد هھاب بنرا او رکز با نے لاس لا ہے۔ چول )| نہیں لب 
مرچ ستاو ركز بسچ سکیا ےآ غر ڑا صن اور 071)] 


على خطبات _ِ می ستل ما رونا طم 
ر رسی د ہکات چون گر کا ىال نے بیان اس اتداز ےکا ا ک خضرت واو ولوخيال باکر 
را یکا ےآ پ نے اک سمل فيصل نادي ۔ او ریت سلما ران راز و مو اک یقت شل ے کم 
111111110111111 ,دک 
کورت کہا اکیٹٹیک ند کچوک روش تراس لئے اس ےکا اش 1 پ اس لاد 
کر یں براسی بڑکی عور تکا ہے اس بر رت لمان کم د اک یرال بجوف گور کا ہے اور بوک 
عور ولا تی تبھی اک ط ری - 
ا‌اں تھے ے والح طور برمعلوم موہ ےک اک رحضرت داور حاط ر ونار ہو 2و آپ 
را ےک وم ےک ییا لک بی کیا کول وبال حاضروناظظرتھا۔ جب میب را 
نار او ريج رکھار پا تھا محلوم اک پر ہلولو كا ركيد نا ءكرا مکی نخليمات کے م رامنا ہے اور 
ریت میں ا سک یکو نيا اش کل هط ڈراک سو نے كران کے متسل طررح لط اور 
کی خط اک باق ے اور بالا ےم كال فل تقد كوه بتكل ےک یکو بھ یکرت ہیں 
ادلی بك سن ہیں اوراس فل او رخطرناكعقيد کے دہ با سے والوں رکف رک ےن ےکی کے 
بل يا ما اللہ رآ را ست سے لك نگ كك ہیں - سس 
2 2 د ری ۳۹ اله اعرالي 
كس راہ کہ وی روی بترکتان است 


یگ + ے 
نہ ہر جاے ملب وال شن 
کہ جا ہا پر بد اراس 
ترجہ رورس دوڑانا مزا سسب بل ہوا بہت سار مقا ات تھا راك پڑتے ہیں۔ 
گاج 
بژار کے پار زموال ماست 
د مر کر سر مرش للنررى رائر 
2ج ال پال ےذیادہہار يك برارول كت ہیں ہرس رمنڈانے والافلند رل ہوتا۔ 


یگ + 5 


ی خطرات Ire‏ ۱ مل ما رونام 
تی اس د ے طبرا خطاايل ماست 
جم :جب عا رفي نکا کلام نو يرن راب رک قلط سے یر هدوست س کی یبال کاپ بات كك ہیں 
عقيو حاضروناظراحاد بی ٹکیا رض ٹل 
١١ء‏ وَعَْ عبدالل بی سوہ فا قال مول الله صلی الله یه من 
مَلائِكَةٌ سَيّا جيْنَ فی الازض نی من می السام . رسنی 
"رت این سوت روابیت ےک تضسوراکرم نے فر مایا بے شک ابن رتا ی کی طرف سے ز شان شل يه 


كوم ھر نے وا سلا ري فرش ہیں جوا كام قرب لامي رق ام تکی طرف سح سلام يبا بل - 
مطلب 
ال صد یک تشر ورضاحت اورمطلب ہے ےک فرشتو لک آي کر وہ ون ئش اس پ قر ر ے 
کہ جہاں ہا نكو ل حضو ر اکر می ار ےلم يدرو وكيا ے یف شت اس دروووتضو راکرس ان 
علیہ دم تک بات ہیں اب :جن لكو ںکا كيده هکرتضور رم سل الل علیہ سلم رل عاض رونا ہیں 
رن فرشتول کے مقر رکرنے اوركحو عن يرف اورسلام جني ےکی ضرورت ب یآ خ رکیا سے جب نکر 
صلی اون علیہ یلم ہیں پر حاضرونا ہیں ال درود یاچ یذ اور نے جا ن نكاكيا مطلب 
الم مر قد وی اماد مث اما نوچ 
۳۱( وَعَنْ آبی فُرَيْرَة ال قال رن سول الله صلی الله علَيّهِ وَسَلّمَ مَنْ صَلَى علی 
عند قَبرِىُ سَمِعْتَهُ وَمَنْ صلی عَلَىَ نائيا اف ربهنی 
"رت الو ےہ ے روايت کتضوراکرم ےا وض هیر ترس پاش که رورو و ڑھتا 
سے میں ود کون لین ہوں اور جس دور سے کے در ود یر عتا ےوہ نك با جاتا نج" 
مطلب 
ال عد یٹ کا مطلب پل دانع ےک جوف دنیا کے کی دوردراز علا قد _ستضو رام 
شرف بت بکرم ال علیہ کم کی دودرو د با ۳ سے اورياتها نے کے لئے وعى فرشتون؟ 
انا مکی ايا جوصرف ا یکا م بے ءا مور ہیں جبيراكدال سے يكبل وال حعدریٹ یں تمر موجود-؟ 


على خطبات ۳۵ من حاضرونظ 
اب ہرصاص بم ول اور صا حب انصا ف نض خو ربک سکتا س کار كرك جا ضر ونار مو ست نو ورود 
ڑا ےک ضرور کیا ؟ اوداك فر کر ےک کیا رور یک اکر ددودقرجب سے ہو ل تور سا 
ہوں اوردور توق مٹیا جانا ے۔ جب عا رونا تر ہو ےا رو رارق ی بکایفرق ہوسا ؟ 
دارا ال بدعت !اين اورت کیا رتم دهدن ال کیاں يبال دو جا نمی سک یآ خر تکا 
مدال ات رتاک "كوه الى كن سے با د سين سے ملک لیس ہوسکتا ءكاميا لي صرف 
شیج تكواينا نے سے ما کل ہوکتی ےکن شف سيل خو ورك یس بتلا ہو تے ہیں او ربچ دوصروں پہ 
ارامات اور ىلر کے ل اوراس مشا لكا مص را نے ہیں 
چ ولاوراست وزو کر اف چا دارر 
ال برعت بر يلول کےسب سے بڑے عا مولا تادر ضا خان صاحب حد ال پنشنش مل للحت 
ہیں شک ایک تلك ملا حظ مو 0 
مہ ہورۓ روضہ چ پر تھے کو یا 
رل تھا سا جد نر یا پھر تج کو کیا 
اعت اش رر 4 ۱ واسۓ 


چری مع ےک كول مت می 
ے با دیا > پھر کے کو کیا 
دو سے بدول سے تم کو کیا نش 
م جس راط ير تھ کوک 
ری روزخغ ے ت بك چیا تنل 
غر ل بجا رضا پھر کے کو کیا 


یخن ۳ ۳۹ ستل رما رونام 


ےلا حظ اوت 
۱ و گر شیک ہوا پھر مم کو کیا 

يك كا یره با پر مم کو کیا 

و ز کل قرف رآن و صث 

رار وركام ہوا پھر تم کو کیا 

لق کون و ان کو . جو كر 

غير سے ور ب جا پھر جم کو کی 

5۶ و برعت کو کیا و لم ينر 

حير وسقت سے پرا م م کر کیا 

1 ساك نستك عي سن "و 

كرو 7 نے تو پھر تم كو کیا 
و یں اش و ندے گی 

خر نے دیاے 

آش دزن لا پھر كم کر کی 
(۳) کے کی اللہ علیہ ول مکو جب مم راع کا شرف مکل موكيا اورداب ل كرآب - ےمقادے 
انس کا کر وف مایا و قري مہ نے ایک طوفان بینیٹر یکھ ٹر اک کے سے بدا سے براضبون نے لله 
و چ کہا کہا دان 
ہے۔ اس دوراڑکا سوالات ے ضور ارم يشان ےک صد یٹ کے بالفاظ ہیں : 

قکر مت کر باکر ث بل قط (مسلم) 
يت میں اتا پر يشان ہوک یھی الع رپ شاناس ہواتھا۔ 
ابل دتما نے بيت امقر ںآ خضرت ی ال علیہ لحم ساسا لاک اكر دي اوآ پ 


3 
۵ وم 


على خطرات 2 مل ریا ضر و ظر 

ق ری لکوجواب دیا۔اگرآپ عاض رونا ر ےا ا سے بب يشان ہو ےکی رور کیا علوم موا بتو ںکا 
ييكقيدوث رآن وعد یٹ سے سی ل کا - 
(r)‏ بقار ی و کم یس ایک وات لاس جکرجب تضو را کرم نے صرت نیب بنت‌تش Uz‏ 
کیا آپ نے دكات و لی کا اما ميا اراس بلا ابا لذ کے بعك مل رب 
ره کے ےو را رم تك ہو گ آي نے مین ہر کک خو کے باب قرف لے کک یہ 
لو بھی جد ہا لیکو دبا رده رآپ نے خيا لک اكاب لوگ جات :ول کے ج بآپ 
واب ںکھ رتش ريف لاس لوو ولوك اک طررح ميك ہوئۓ کے الفاظا ملاظ ہو: 

مظن انهم حَرَجُواَرَجَعَ دهم جُلوْسٌَ . . سم 

آپ پھر باپ ر لے گئ »كال در کے بح رضت اس آسي مس الث عل وس مکواطلاع د کے 
اب دہ سحل گے ہیں ۔ برآ پاب تش ریف لاۓ اوريمراس واقعہ براصلار کے لے ترآ نکی جنر 
مت ات »اب رک کنا ےک اگ رورم یرل مم حاضروناظظ رہوت قوسي ہاچ رجا نااور 
ان کے لے چا کا خیا لک اب آنا اود پچ جانا اس کے بعد حضرت الكل الا کرو رآ پک 
وای آنا سب بك ب كرجا ےک کول ما ضر وتات رکا انا کوٹ کل رکتا۔ ری اطلارع 
کوش رق _معلوم ہواحد یت ہے۔ ب بو ںکاعقیروفلط ہے۔ 
(۵) ایک دفو وضو راک رم سای اود علیہ یلم نے مش کین کے مالا تہ معو مکرنے کے لے ایک 
دست بطور ماسول ديدح مل ہک طرف حضرت اک سركروكا یں روات ریاد یا را سے ٹس ہے دل 
حرا کا ر کے نر سخ یی سآ گ ےآ را كوو نل شب كردي اكيااوردوأور فار سمل يادي لاد 
تاف ترت ماک نے بوتت شہادت بیدع اک الهم اخبر عنا نبیک اے الد !ار ےعالات ے 
اپنے پیارے یلاش فرءا: هد 

جنائي جرک ل ام ۲ رتضو راکرس ان علی روم مکو بورق اطلاح دے دک اب اگ رتضور 
رم اي وم حاض رونا لم ےا ان مھا کو جا موی کے ےک ےکیوں روات غر ما ےک ہکذارکی یه لآ 
يزحطرت ام کی اس دعا کی کیا ضرو رت کا ےا ما رےمالا ت ےتور اکر سل اللہ علیہ ولو 
م ملا ارے؟۔ 

معلوم ہوا بر يلو بل اور راقضع کا یقیدہ ال خط رمک اور با عت شرك و گراتیا سے ہر 


على خطبات ۳۸ مکل ما رونام 
مسلا نکواپناایمان بیانا جا یئ 8 
(1) .ايك فد دنورهش ایکون نے ل كروي اماب ین ہو کے جخور 
کم سے حر تف ےکھوڈ الور عار یت سا رال پل ری لک یواست ورد ید کے 
اطرافكا كر لكايارا تکاوفت تھا کا درل بحا ب ب شر یف لاۓ اورسحابہ سےف رما لول خط رول 
ہے۔ پان موده کی رور تس ےب لاومو چنا بط كما اکرحضو راکم حاضرنا ہو ےواں 
را ركوط ےکوعاریے لے اوراغی رز ین کے اس پرسوار ہو ےک یکیاضرورت گید لآير 
فر ےکی ریا ضرن رو ل» هس ب معلوم ہے اوھ جا ےکی ضرور تک كول وشن نیل - 
(۶) جنگ اذ اب کے موق پآپ سف كقار سل احوا ل محلو مک نے اور رکف رگ اطلا سے لا نے کے 
لئ ین دفص اعلا ن ف رماي كول تار ہو جاۓ اورت رما يان شت سرد اور را تکی جار کی اورخوف 
اعرا مکی وج كول تا رل ہوا ںآ خضو رارم نے فر مایا كاسع یف راٹھواوردشی نك ترا ححخرت 
عد يف ”را ست ہیں لجسب تضوراكرم نے میرانا مليف يبل اشھااورجا تين احوا لكر کے اطلارع نكري 
کوکردی ححضور ارم فل ہو گے _ 

اس وات ے روز رو نك طررح 2 وی کرتضو را گرم حا رتا رنہ كور نآو یک ےک کیا 

ضرو ررك ؟ نيزحضوراكرم کے بار باداعلالن فرا سه اوراس بغار تک کیا ضرو رسک جوکوئی يكام 
کر كاده بجنت یں سیر سے سا تھ ہوگا؟ بی سا بكرا مات یکقید :تک تحضوراک رم لی رل وم حار 
رد ست ود نسحاب فا کرت ! آي لق خودعاض نا ظ ہیس ی1 وی سے کی ےکا اس طررح ارارک 
کیاد رت سے معلوم نوا حا ضرناط رخال پر او کا قیر امت کے عقا ت تخلاف ے۔ 
(۸) ایغ وہ لحرت عا کے کرک موكيا لعفن )کوروا نکر نے کااعطان ہو چک الیک تضو کر سی 
علي زک ف ر کی ر کک :ما ذكاوقت ہو چکاتھااور انی کنا مسقنا <عررت م ران کے 
خضرت ماش رخ مکی انی سے ار کشا هیارا ری ےسب سلمان پ نان ہہ گے 
ہیں رڈ وڈ سے واس تلا ل یش للك تآ اٹ کے تهت پا برآمدہوا فا كك آسان سم 
تم نال ہوااورفو رج روات وی ۔ اک سے بي بات ومع + یکاک نك ركم عاض نظ ہو ے5 آي كسا 
)ہو اور سای افو لكوت بر يشال الاين مدل حاو م موا ر موي نكا قير حاض :ظط بہت ک کته 
كدت کال بدا ناش يعت هکس مان کے لی متا ساس ۔ 


صلی خطبات ار معلیاضرونظر 
ید 9 

ایک عا مآ دی کی گر حاضر ناظر کے اس وا لکوت لک رخن مل سوج لتا ےت آسانی 

ال تیک جا تا ےک وال اشتعال اس كوك مقرب انان اضر نی بو سے پھر 
حضو ر کرم سی ای ول مکی مبارک ند یکواکرای ینس را عاضر اظ رکا يده شمر سے 
شل رص حقیقت رورم او علیہ یل بکرم طا ف کے سخ سر چنرون کے لے عد 
ارم ضرع رك تیه کے مدنا ےک کہ سے ماف جل گے جب ہرگ حاضر 
رمق اس کیا طلب رال تا ہوک مم جن عد کی ناہج کي 
مطلب ہوا؟ ایر داق ماع مس یبال مو ہا تا تک عضو راک رم مقہ سے بيت التق ری عل گے 
راک را تکووا جل مس _اگرحاضرناظ رکا عمقید و انلیا ان تام جزز و لکاانکارلازمآۓ 
گیا ےتہر ےکا کول جب يبد ےآ پ ايك ج بل عاضرناظر عم آذ ہا كاكيا مطلب 
ہوا ایر ایام یش دثوت سل لپ شک 1 110111111011 
رات سح لاا تکرنا اجان متام انم جانا سب باط رتا سے ۔ حا لاہ لن اتات 
کا کر واحادیٹ میں ےمعلوم ہو اہ عاض رونا ظ رکا عقید ہخور پل قی ے اورا عقي وكا رك والا 
ورک لت یکا مج سے سب ے بذک اور تطرنا اک بات ھال ہے ےک ہکس مھ يدك طرف برت 
کا عقي رطق كقيره. اورتجرتكا مطلب ہے ےک حضو راکم کل رہ سال تک مل كل ر سے پر یش 
جل كك اوردل‌سال يدل دج ج بکلہ ٹل م يدث لكل تھے جب ء يدل لامك شل 
نبل ے ارآ پ عاض رناظطر ری موجود ےت ربتک پرافقش پا ريا سے ننس سق ران و 
عد کا زار لامج ہے اک طررح آ كارع رها سف بل لکھہ رتا ہے كوكل ج ب أب یط سے 
مقامات رع شی مو چور ےا پچ ری بن سے رع ےس کاک مطلب ہوا ۔ ای طررح جراد کے اسفا رکا قگر 
امنا اور یا اکآ پ ہر جل گے ءاعد چ كبر جل کے جوک عل .معط میں 
جہادکیاء تن دطا نف کے لئ جل ےآ ج دہاں ھکل دہاں ےکور جل گے ہمد يدا طيوس شرا 
کے کرک لہ کے سب ب بال لی رجا ے معلوم موا يقي ونها يمت خط ر کک ے لگنا کی خلط »وكا 
کاپ دنا ےت ریف ے كوك ما ض رن ظركبيل جا جنال ہے پر یو یو لكاددود کے لے قا مک کے 
کہنا بھی فل ےک حضو 1 سل کیرک جوعاضرو نا روت ے وہک ںآ جا ہا ال شتا پیٹ کے 


على خطرات ۳ مسسلحاضروناظرر 
ان بترو نمل ووش عطاك ےکر یع کا کار دک ی ۔ 
قال ست روہ دہ وی مرکا ہے اور وی ل وواپن کر کی ایدم کے ساس ےکر پم 
کی بات سے ڈوب مرن ےکامقام سے شون میں متا پا خان کی بد بوا اد پا چاو را لكا یی س ےک ہیں 
يران ری رکبھی موجود ہی ںکالیوں يركاليال دےر بس مد اس ادرا كاعقيده ےک 
ان کے مق تفرك نہیں بر ہیں جب مہ بات ان ادبول ےک جالى چا فا ردب لكر 
ناگی عاض رونا ظ ر ے اک کے سام سب بعتا سے ا لكا جواب ےس ےک اد تھا كى ذا تكو 
اس توت ت كرناغلط سے ال تھا م ان چیزول مت نيل »وتا ے وهالن چ زول سے منزہ ہے ان 
ی کا ار کل موتا اولوق ایک دوست اث لت ہیں - 
اضر ظ رکاعتقير وفقہا رام کت رل 

تہ كرام ال امت کم اورطبیب یں انہوں نے ش مطهره سا هگ جاضبارانہہ 
انصاف ہیی اورافرا تفر بی سے پاک ومنت فر ما سے جام مھ یہ پر بہت بڑااصان ے ينص بان 
آیت وحد یٹ گر نے کے لن اگ رفنہا کرام تما دغر ما 2 امت امک يشال مل جلا مہا الہ 
ہرگ یکو سج میں رجت اک الك بت دسا اي بج کے مال ن لكر ے جو باعح تشو یش ہوتا لکن 
شراشفتها کرام کوا کل کےا ضے کےمطا ال رک كرام تک رمال اك ودش يلوك رک تا کنلال 
امش میت رگا ہے ۔فلاں امرواجب اسن توھب کے درج ے خلا واذا حللتم فاصطادوا 
ام اور اقیموالصلوة ایک امرہے۔ ایک في ےل ہماز یع اوردد ساسح ب گی کی یرما 
كرات فا درن نے شکارکردہ اب فر ن سوا ۓ فقہا وكرام کے اوراون بسن سپ رانک الم سے 
كان تيا لل اتحصب روہ ینرک نے اتی پیٹ می ہیں لیا ات دیات امام ت عبت اورانصاف 
ست انول نےنش کرد بآ تل امت کے لئ لل راو ہے ہا کرام نے ها دوس ر ےا مات 
کو بیا نکیا ہے دبال انہوں نے عقا تد کے مسا لکد برا ے اور وہ ما لبھی الاح ہیں بن سے از 
ضروری > کو یا ران > اوراعادےیث ! سی رر > اورفقه ان دول کے لئ رل دفعات 
ےاور برقا فون کے لج دفعا کا ہونا ضروری ہوا سهد الى سال دعقا کر میں فقها كرام نے اس مل 
حا ناظ راو رت لی فی بلا ای ناو شش وضاحت کے ہاتجھ کل کیا ے۔ ہلا نف اٗمیں: 


على خطبات ۱ ۳ سلما رونا ظطر 


1 مقا ی خا نک افو ی 
رجل تزوج امرأة بغیر شهود فقال الرجل للمرأة "غداة راومہ رراگواءگرویم 
"قالوايكون کفرا لانه اعتقدان رسول الله صلی الله عليه وسلم يعلم الغیب وهو ماکان 
یعلم الغیب حين كان فى الحياة فکیف بعدالموت . ( اوی رض نان ۸۸۲) 
کش نے بغیگواہوں سك أي مودت سے کار کیا اود بوتت ڈیا رتکد که کم توا اور 
اس سك رسو لل نی ول مکوگواوبناتۓ ہیں حرا ت فقا اكرام ذفر رسكن كا كينا اگنر كول 
الل نے ها عنقا درل ےک ضر صلی اللعلیہ وی غیب جات ہیں عالاك آي ذندك شل خی ہیں 
ہا کے تاذ وغات کے بع ربعلا کے جات ہیں - 
را مرولوا ۲ کو 1 
تزوج امرأة ولم بحضر شاهد فقال تزو جتک بشهادة الله ورسوله یکفر ‏ 
لانه یعتقد بان التبى صلی الله عليه وسلم يعلم الغيب اذلا شهادة لمن لا علم له ومن 
اعتقد هذا كفر. (فتاوئ والوالجيه) 
بیش نے كوا مول کے ای ککودت سے كارح کیا چون ہگواہ مادقا تس کور توقطاب 
کر ہوۓ لو ىكبا" ل ابش تیا اور رسول انڈیصلی ال علیہ یل مکوگواو اکر تی رے ساکع کرت جوز 
ٹف سکاف ہو جا ۓگ يدك اس نے ا ظا وکرلیا ےک خضرت صل او یل مکی رفیب تا اوآ پ اس 
جل میں ما ضر اظ ر تھے )یوک ین سا علم نہ مو و وکوا م كب بن سکتا سے او رن لكا عقيده ہوک ہآپ عا لم 
اليب اور حا ضرم ظر تو ومن کافرہوگیا۔ 
شا نک فی 
لو تزوج بشهادة الله ورسوله لا ینعقد الدكاح و یکفر ءلاعتقادہ انه صلی الله ۱ 
عليه وسلم يعلم الغيب (بحر رائق ج ۵ ص" )١‏ 
رصن دا تھالی او سول کرمم٥لی‏ اللہ روسكو كاه نایار سرس سے ہوا ہی 
نل درو کارا ےک کیرک ای سے باكرلا ےک ہآ خض رت شرع وم اليب جا نت 


على خطرات ۳۲ اضر نر 
جے(اورماض ا ظر تك )- 
صاحب جوا پرا غلا ط6 نوى 
زعم ان النبى صلی الله عليه وسلم یعلم الغيب یکفر فماشک بغیر۵ . (جواهر اخلاطيم 
اکر ىنص نے ریما نکیا مخض رمت لی الیرم خیب جات ثيل وکا جا ۓےگا اب اگ سی 
دوسرے نیقی ہر کے کوک ر سلدان رولا ج“- 
فاویتا تا رخا يكافوى 
تزوج بشهادة الله ورسوله لاينعقدالدكاح ویکفرلا عتقاده ان النبى صلی الل 
عليه وسلم يعلم الغيب . 
ای نے اٹ تیا اوررسول اش اللراعل یل مکوگواو ناک رمیا حکی اح تو ری بو دنس 
کاب یلاعت ریک یکر می اي وم عا مایب ہیں (اورحاضرن ر یں )- 
شر فقہاک رکا فيصل 

وذكر الحنيفة تصریحا بالتكفير باعتقاد ان النبى صلی الله عليه وسلم بعلم 

الغيب . (شرح فقه اکبر ص ۸۵+) 
رات فتہاۓ احناف نے صراح کیا ت سل جیا نکیا ےک میکقیده راک یکر غیب بانج 
یں نا فرب 
كر محطرات! 

0009 نے يكرد يل الى سكعلا وو فقا کرام مکی ستل و نک ون مارب 
رات جود ہی ںگو یا ہا کرام انس سب كول ات فاص نو ایا ناخ 
رکنا چا ہے ارام نیسحت ديت ںکھانا ای ان سے دنا کیال کان جود نار دهد 
يقابلا بدك خسر انا وا لآخخرة انك دنک اور خر تبھ یگئی_ 


اروا ں کا حاض نا ظ ر ماتا کے 
کرام اوراولياء تلام کے تخل ما ضر رکا مس و 7 گی ا بآ خر میا 


على خطبات rr‏ مت حاضروناظر 
ف وی ان بن ركو ںکی اروا که ی کی ا حرف امیس کاردا كالح رول می اض باظ مان كيرا کی 
اكث لوك بيكقيده رك کدرا مکی ادوا مرول می ںآ کی ہیں۔ 
تابن نوی 
ال عُلَمَاننا من قال اروا الْمَشائْخْ حَاضِرة عم تفر . بحر لرق ج٥‏ ص ۲۳ 1) 
مار رابت علا احناف ےرا ےک جو ےک کہ بز ركو کی دول برجلہعاض ہیں 
ادرو ہمارےعالات اج لتاق کافر ے۔ 

کر م حطرات رامت لاسب سے يذ مره فقهاءى نص رجات بل ان کے دوٹوک 
فڑے ہیں ایک یا وول باک ول بزارول علا ہکا فم تلف ے ا کو کرای کس حا سنا بعلا ب 
نہیں تیال فمل سب ماوقا رکا اش كفراف کر تن انی کرام رومام لغب 
اور ضرن مانن دون کا فرموهانا ج- 

را ینتھا می غاص ری سے واب وس كرتم بسك كيلول دی بدك لا 
ری تے با غیرمقلد بن حك إلى ست یل بل ايك د یراردا ترک انصاف پشعل تل جماعت 
تھی یا نكافوئ ےک ول ٹس افو سے ا عرائ كرتا سوه اپ یمان وديانت واماغت س باو 
ہر اوک کے ركنا سے كول نكل کے مان اف نی ول سال اذل ای 
ےا لتم ولى دجوا کی بل بیت ہے ۔ 

۱ وا خر رأ ج مج 
ول غيطان کی لک شس > 
ال برع تکاپہلا استرلال 

الى برعت ےت رآ کیمک بر سآیت ے حاض نظ ر کے مت پ تال کشک 
ہے نآتوں ل لفن شاد هيدا .كوكلا ن ی 
کامطلب حاضروناظر کارا سپ وکوا يلض رورق کد عاضر ظ رہ کیک شاہر 
او روا کے لے ضروری ہے ےک و ہما رونا رواد رسیم کہہرے یں تب باایهاالنبی انا ارسلناک 
شاهد أومبشراً ونیرٌ4 اورت ا اناارسلنا اليكم رسولا شاھدا علیکم كما ارسلناالیٰ فرعون 


ی خطبات rr‏ لاور 
رسو لا اورج فکیف اذا جٹنا من كل امة بشهيد وجننا بک على ھؤ لآء شهيدا»# 
الل برع توب اب 


اس ات رال کے جواب میں نياو تفیل میس جا :انیس حا بتاپال یش انم اورض رو رک ہے 
سا ےکنا يا مو لك یقت ہے ےکا ایک عد یٹ میس ا لوا یکا مطل ياو بك لتيل موود عر 
سے ابد شہی رکا لور قتضيكل ہو جاتا ال عد ی ثکا غلا صہ بد ےک تیا مت كدان جب سسا قا سول 
كا لے انیا كرا مکیسا تجح تتاز عہ ی وا ےگا فو انیا را میں ےک ہم نے دو تی ا نکو چا تی 
امت لكش کنیس نے یڈ میں بتایا۔ اب القدتحالى ان انیا ءكرام ےا سول 
اہی طلب فر ےکا و انیا کرا مف بل کے جما کوا ص٥لی‏ علیہ یل مکی امت ہے دہ ایاردے 
گی جب تحضر تک ام تگواہی د نوو ولوك ا كوائى م ات کرد یی سک جار وں سال بعد 
نے والی ا مستبم بكي كوا من كلق ہے۔اللتھالی امت د یسح فر كيملل طرر جگوای دہے 
ہو ام تج مہ کک كرا الدب نے ایک رسو ل سل او عورش فر مايا تاو ران يرق رآن 
م ناز ل ف رايا تا تاب یل وا ب ودب ود كان انها ا ہکرام نے ايف امتو لآوقوب ا 
رامت نے انكاركيا تھا ا انق يرا نكوا امول ےکی کے تضوراكرم تشریف ايل کے اور 
.وی دی یی ک ےکم ری امت نے ج روا دی ہے دہ بكي ہے۔اسی انقبار ےآ پل رآ نكم 
نے شاب کےلفظ سے یا دکیا سے مک عاض رناظر سام ب اکر شاپ ہی عاض نا ظرہونے سل 
اس رافظ ام تھے کے لے یاو مکی تح اتا لكي اكيا ہے می امت ق ریت تا مان انو 
حعاض رظ رہوجا ےکی اوررسول اکر صرف ال امت پر حعاض نظ ہو جا نعل گے ںآ یت بح بو 

وکاک جعلنا كم امه وسَطا ونوا هد آء عَلَى لاس ویکون اسول 
علیکم هیدا 4 (بقره ۱۳۳) 

ن ای طرں؟ (if‏ ایک معتل امت بنادیا جک کول پہگواوہنواوررسولٗ اه ے۔ 

كترم قارین ! آپ نے دیکھا عاضر نک يده رك وا ےکس طح يض کے ؟ مرف 

ال ےکا ہوں ن ےآ یی تکا مطلب فلو لیا .5 : 
نہ ہر ماع رب وال عضن 

کہ مہا پر بإ .یر اران 


على خطبات ۱ ۳۵ متلحاضرونظر 
زار 56 ارک ر زمو یا است 
د ہر کر عر براشر فلنررى دار 
چیں نوی تن ایل ول کوک خطاست 
تن شال نہ سي درا خطا ایی باست 
جب عد ييث میں شاب رأ کا مطلب خووتضو ارم لى یعیطم با یز ا یکوا ينانا جا یئ 
انی طرف ےم اضرناظ رکا عقیدہبنا ‏ ےک کیا ض رورت ے امت قد یسک شب دآ کا لفط ورت رن س 
بھی ای طرں آیاے: 
لیکو الرَسُول شَهِیْدَاعَلَیْكُم وتکونوا شُهَدَاءَ عَلَى الناس» صورهحج 
جا ک رسو لكوائق دسييك وال تاد سعاوي ارم کوانی د ےۓ دانے موتا لول ب 
اد کراپ دای صربیث مل تو م فورح کا تاز اوه طورعثال تناز رع تام او كا 
اسن نيول کے سا ہوگامیس نے ا مو کا خلا سحا ےو م ف كاذ كر لكيا- 
برع ل )لوكو نض راربا ره می ليد سے راس کے لے لازم ےک 
اس لف اكوا كرك زنک یکی ت خا دج ےکیونلہ وفات کے بحر ما ضرا ت رر ےکا قی رکف ہے چنا 
حرق" نے ای طط رں فرمایا۔ 
لإ رکنت علیهم شهيدأمادمت فيهم فلما تو فيتنى كنت انت الرقیب عليهم 
وانت على كل شئى شهید 4 «اندم 
اورا یگوتضور اکر مکی ا علیہ ملم ےرا اک هل قيامت کے دك وو لفن كبو لكا جوا تقال 
کے صاع بند يتس كبا تال میں جب تک ان لوگوں کے رمیا ن تھا ہگرال یکرت تی ین جب 
آپ نے بے انغالبا زر تانيرك رپ ران تلبات تال 
فر لوا اور يت کی داش کردیاےارشادے: 
یوم یجمع الله الرسل فیقول ماذا اجبتم قالوا لا علم لنا انك انت علام الغيوب» 
اورحد ی حش بھی ادا کرد یا ےکہ: 
فانک لا تدرى مااحد وا بعدكف 
خلاصہ کاک شاب وشبيدقلوق کے ے جب استعال ہوتا سذ عاضرنا رک ليناكراتى > 


على خطبات ۳۹ مل ما رونا ر 
بال اٹ تھاگی کے ے جب استعال ہو ےل پل عاضر کے ن اشتعال سے شای ن شان ہے و رتاو 
بر راب اشهد ان محمد ارسول الله وکیا و تضورکی رسالت کے وقت حاض نا ظ ریا 
وشهد شاهد من اهلها عل ده تور ماضرتها؟ مبرعال چالا ىكل ضر ورت کڈ دیا ت اورخوني 
خداکی ضرورت ہے تو دید دگل تک ب دومن رین دم ہر نشار نک بات پ 
کر تارف تکامیاب ہوجائۓے۔ ۱ 

ناداثو لكادسرااسشرلال 
الى برعت وش رک سور رک ای کآیت سے اسر لا لک کر ے ہیں جو رقت رعو 
دس كس عرز ودوك سے يك رس وانے مین باه 17 كراينا عزر میا نکر ے سے الہ 
تقافر كاب مز رمع زر ت يوز وآينده r‏ عت ہیں اس میس ال تھاٹی اورال 
کا رولتہارےگردا رلور ل آيتيب: 
لِوَسَيْرَى اللَهُعَمَلکُم رَرَمْوْهُه 
یی تم نگل کروم تہارک با ت ایال مات یوک ا تھی نے“ می تہارک خی یی جا 
دس اورئنقی بآ وك ا تیا اورا سكا رسو تمهاد سي كود هلكا اوريجرمكوعالم الغييب اش 2 
د بطر فاد ےگا وکوت ہار ےا ھال کے م طا بن يناده 
ا آیت ابل برعت بڑے نول ہو گ ےک ای مل وَسَيرَى الله لک وَرَسْوْلهُ نش 
حضو ر كرس الث ليرول مكو سب اعمال د يكت وال کہ گیا ے جو اض ربا ر کے ن بل ہے۔ 
وب 
مره یت سره و آي تہ م۹۲ ہے اىاسودة توبك آي تبسر »بالكل اى طرح ےار 
دبال د كشك بست می نکی طر فك ے۔ارشمادے: 
ول اعمَبوًافَسيرَى اله عمتکم سول من وَسترُْن إلى عَالم ليب وَالشّهَاة) 
نآ كبحب کےا ینتم يك لک دقر ب قاتا رای رسول اود 
سلان رل 
اب يهال ال برع تک ا كد يل سکیا سساد ےمسلما نو لو اضر ریس مہ ان 


على خطبات ۳ ستل حاضرونظر 
کے بے استدلالكا مهام ل 
ےہ بر جا مكب وال اس 
کہ جا ما پر با یر ارا شن 
نار کی پاریک تر زمو ایا است 
نہ م کہ سر براش لترری وار 
صن بیہاں ہرارو ںی کے یں عر ف ہرک کے ےآ د ىقلئر ل نا 
تا لصاثو لكا تاا ست ر لال اورا لکاجواب 
کی برعت حرات حاض تاق اوم خیب کے ووفو سوبس یکرم سل او علیہ ینلم سے 
جزات سے ادلا لک سے ہیں تها ہیں لور ہضور کرم ن ےکوی اطلارع دی او فرمائی ال 
باکت نے شور جين رو کرد اک دیکھ وتضو ری ال علیہ یلم ما الخیب تھ يال ےا كاجداب بر جک 
اتکی یکی نبو کی دسل تومو کے ب ليان ےرات الوہیت پاتا یکی کی عفت نارس 
شک کی وم لكل ہو گے _| یر حکرکا تگ اید کی ولا یت روع ل مو كت ہیما نکرامات 7 
ابیت يا متبودييت میں ش رکم کی دی لال ابی طررع کرک مکی اللہ علیہ لم نے بہت سارک الک 
بای س کٹل ل کے وا ات سے سے می ان زات اور بو ولا ال لقصل 
سے یا لسکا ات يأبو لالجب وق کے ذ ل ےا چو لك اططارع اش تا کروی تور 
نہ یٹ غيب دبالورش رهاض رن ارك اكول سرب الل بدعث ال سق ات دلا لكر ة ب لك قب رءل جب 
رک رده سے سوا لكر تے ہیں زو وبال یکرم کے انوا ہو ےک .اقول فى هذالر جل گر 
الوم تا ريخا وید »كت ہی ں کا وت تضو را كرما حوس ہت ہرقب ر 
سل روز اش لاحو ل چ ب بيك ون تضوراكرمكا م وجورم ونا عاضر نا ظ رہونے على قحا الک واب 
ای کیش جها تيل جو إل یی > اذى بعث فسكم ين رض متاق 
#باراكياخيال ے :تارق طرف ی ماک کیج گے تھے ۔ اب فو واضرناظركا سرا ددسراجواب بیس 
لمع ال جواشارہ ہے بیاشارہذہدیہ ہے ور گاوره بل ہکشرت موجودے۔ 
ہل نے ابوسفیان سے پا چا ماتقول فى ہلدالر لہ یہا نگ اشارہ ہے يهال حاضر:ظر 
کانصوریں يلداشاره بير ےل ترش ای ط رب شار بدي بوج ہے می جو اب شا رل حد عث دیے 


على خطرات ۳۸ تما روم 
لک دشک یا یلوک ياد بال كى طرف تذل اشاره بدي ہرز بان ل هتسه ویو لش 
صاح بک فير با قاعدہ اال اشار ہکا كركها خودا تد رضا خان صاحب کے كلام شل ہراشا ر وبنير موجور 
سل وم رت مولا نپول 2 ہو سے کے ہیں۔ 
”'اشقا لا مرکا رش کے یربا ۔یہاں همزال 
کار ات رضاخان صاحب کے پا کی رت تافو اضر ه؟ یرس اح رضاخان 
شا ام يل کے تل انا ہے_ 
"رخص غیرمقلدی ل اودد بن الى ل بكو زار یکا پان ککگھو تسه 5 
ال عبارت م لبھی چا رضاخان صاحب ري كي كرا امل شی كوعاضر نار 
ان ليا رفش كروي يبوره عاضر اظ ر سه کر ایک اور ہش و ها ہے سام یہاں. 
بھی ہے تام اشاره ہے الہ ہے اشاره ذبدي تل فو شاه صاحب امم رضاخان صاحب کے بال عاضرظر 
مك يكيب نطق ے سه 
سوخت کل ز مقر تکار چ بو العجمی‌است 
ماما ین لک ايك عبارت ےفرماتے ہیں ! 
هذالنبى صلی الله عليه وسلم واصحابه والتابعون وهذامالک فی اهل 
الحجاز وهذا الٹوری فى اهل العراق وهذا الا وزاعى فى اهل الشام وهذالليث فی اهل 
مصر . (مغنى ج | ص ۲۰۳) 
ال عبارت میس چا چ هذ اکا لف ظآيا ےل کیا سب خطرات حاضرناظ رمو كم ؟ کب 
جیب اناف سک ایک طرف ت رآ نکی نمو قط مو جود ہیں احادييث مقر سک واقعات ہیں 
رام کے صرف فح یس کف کے فق موجود ہیں علاء جن کی عراراری موجو بت 
ا رصرف شتا چا رل اوردوسرئی طرف ےرات الل برعت ا ہے ات ررر کے 
جا رتيوت ےکک ز یاد فده ہیں کیان درا کو اکا نو فک لک ہووت 
میں اپے ا جارات اد رتاو یلا ت ہی للست ہیں - 
ای انصافول کے سل ش| ایک انصال ان لوو کی ےک التسحیات میں الملا 
علیک ايها البی کور اکر کے عاض رت ظرہونے پرلوراستد لال بی کر تے ہیں مالک یڈ ۲ 


١ ہد‎ 


على خطبات ۳۹ مسا یاضرون ظر 
اتال کی طرف سے ہے جومع ا نکی رات تو رارم ل اڈ علیہ کوش تال نے خطا با 
ملك تے ہیں اس کا ما ضرنا ت رس کیاکی ہے بک درختارل جک 
ويقصد بالفاظ التشهد الا نشاء. در مختار جاص 2۷ 
یی ليا الى سک فا او راخ ودعا استعا لکرنا جا سے ( تک بطورحاض رن ظر)۔ 
ورفر مُتقی فی شرح لیخ ا »ال ے لابدان يقصد بالفاظ الدشھدالانشاء۔ 
کالفا ظانشٹہد ے انشاءمراد ليزاضرورى _ 
مک ریصن ےک : 
وحكاية مافی المعراج على طریق الا نشاء. 
ین الا ققدم رارج سآ پ کی اوه تھا سکوانشاء کےطور يراستعا ل کناچا بے ۔ . 
راک فر مات ہیں: ۱ 
و تقیقت ال دعا است وراز اکر چ ہلصیف خطاب است۔ (دارح لخو ص وم) 
شك السام عليك ااا لی ماش ايك دعا سار چ خطا ب صورت ٹل ے۔ 
حر ت ا توبات شل ایک تفر کے ہیں تر جمدملا حظراو- 
رک ہک خطاب نے حا ض رکوہوتا ے اورا سيمل اللہ علیہ سکم اس متام مز ع لل حاض ریس 
وت باس خطا بك ل ج ےکی موك ؟ 
جواب ا كان ےک کدرا شب معرارخ یش مین خطاب واردموا ے اورا كواى بر 
تر ارکھانگیا اور اس می کوک غ نی كي اليا ]شی نبور ابیت کرام تال اپنے ناک نے ساح 
خطا بك فر ما ےو اب جو لدان ا كويد نا چاو اک نق کیا تیر ےگا اود يادعا کی ورت 
ورد کرش يتسه ی 
شتا رسد ٢یا‏ سے اودالثرتخالى تا سےا نو لیگران لاس اورداوقن چلاۓ۔ 
آ هن پارباله ان - 
را گا کے با از لو رم 
وَبَبَالَمْيَفُلْإِنَىقَرِيْبُ 


رات جما دی ال كم اک 299 با سک رکف تار یا صد رکاپ 
موضوع 
اتال کر بویت عام 
سم الد الرتین ارم 

الحمدلله وحده والصلوة والسلام على من لا نبى بعده وعلى اله وأصحابه 

الذين أوفواعهده أمابعد. 
سبتھریٹیں ان کے ك ہیں ون ولا سب فو ںکا۔ 
گر محطرات: ۱ 
رهگ ال ل بالف درشت لكات جم سسب تعيض ان لئ ہیں۔ 

یہاں ال بی ےک روک بل ٹل ایک زمر ےکی شی لج کرتے ہیقت یمج اک 
مسبت الل سک لے ؟ ال ےکی جوابات ل ےی ےآ سان جواب بیس هک وگ سار كا ناتك 
خالقی وا لک شتا ذات از تتريفكا تن یقت دی بات یکا تا وجوداورا يرقا ل 
تال لفان سجاه ل یتک تیف ل کیک کی ہوک دوتقیقت ای نال کا یا ےک ہوگی جو 
سب کا ال دا کک اورس بکا داق كوي تھا تكا روج ودای جرخو کیساتحداسی ا کی مف ےلیک 
رای پا تیف یقت ماس با او يال ولا یزال ذا تكآقريف ے۔ 

کال اش مک یکرج بكو ل کف تن ری کر سےا اكيبا 
پاب كنا بدا ے وہ افرص نے ات باس انا نك یکبس وه اذ رسن اسک عام 
جوا نک رخو بصو رلى عطا كل » اوراءل طررح ال آوازعطا کی ۔ اس انداز کت ریف ورحقيقت اتیک 
ريف وول ادا ری فک كذ افش میگ 

ادش سار تارف کے بعد يهال وف ۔ اک ما با ناوراک ر پکالفظ > 
ار بک ٹر ے هانگ وضا حت باعي فآسون »ول _ 


می خطبات __ ۳ ٠‏ الا یر بويت عام 
عالمين كا مفهوم , 
ان ما کچ اود الم کے جہان کے ہیں عم پہ ہےای لئے یہاں شع کف 
بستعال ہوا ہیی عام انان »حالم من عالم لاہ عم موت عم نا سوتء عام كوت »حالم نا 
:7 پر زرغءعال غت عام ارواحء حالم طبور اور عام وتات بی سب الگ الك عالم ہیں اورس بک 
پا لے دالا شتا عام لك اقام کے تلق سکاو شیف ل٢٣‏ بر ایک عد یٹ ا رح ے۔ 
وعن عمر رضی الله عنه قال سمعت رسول الله صلی الله عليه وسلم یَقُول ان 
له روج علق الف امه نما نها فیالبخر وازتعیاة فی ار (عق) 
حطر ت کر بات ںکہیس نےتضوراکرم سے يف را 2 سنا ےک تال نے ایک رار تل بهيرافرماد يل 
یں دعر سمندر ل ںاور پا سل بر ہیں اوران امتوںل سب يله ل اک ہونے وای امت نژ ولگ 
ہے جب رلک ریاس ہوجائۓے رداپ ددرا ات موا مل ل- 
رب العا نکا مطلب یہو اک اتتا فی چ وموک ری اتو نگ پر وق کیا کل جا اولك 
5 رسوامتو لكو بروفتت رز ق پیا تا ہے اور رام تیب عام نوي مطلب ہوارب العا می نک کاب 
راد جب فو ںکا پا ہے والا سے ان عل نض کے ب ے یوان ہو گے و هناد کھا کھاتے مول گےء 
ا نکی ترا زياده موک الوم ووان س بک پا لوالا رب العا ين >- 
کات 
حرس لمان نے تعاس درخواس کک عل تر ی تلوق کی ایک امک وگو تكر کے 
ككاناكحلا نا ات ول ال تھی نے فرمایاتم ییا کی كر کے ہو حطر سلبان نے فر ای كرايك بغت 
کا ںگا۔ ایل تال نے فر ایا یکت سکرو کے فر ای ايك د نكاد لک فر ایا ےکی کک رکو 
رای ہو ےگا ایتا نے اجازتديدى- 
حفرت سلیرا نک یحکوست یب شا کلمت انا فول پل جنات يكوك كرك 
وير یوق تی کول ری - چنا رپ ےنت فتلو اوک شک مول برك ديا یکوگوشت 
لانے پ لاد یا یکو پلانے 7 ديا اور یکورسترخوا ن جا نے لكا ديا - ايك باه ماف تکک دستزخوان 
یلا ديا گیا ادرکھانا تيار وکیا مڑ سے سے بچانے کے ے ہوا ںکو بمو ریا گی كا كنم يشي كا كام 
کرے۔ چا جرج بکلا i‏ وش تآ گرا نوا تما ی نے درت ایک پل یک دےد اکآ سا 


على خطبات ۴۳۴ ارتا کار و یت مار 
ےکھان ےکا اما مكيا ہے جنا مت 7 اوحض رت سلبان ےر اک لوم ہوا ےک ہآ ين آپ نے 
لوق خ رال وگو تك سے اورمعلوم ہوا ےک مر ےکھان ےکا گی ا نظلا م ؟ حر لمان سرام 
سکھا كماع ار چا دسترخوان سك آي كنار سسکا مان دوس رک طرف 
ےکک کی اور پھر حطر تسیا سح كنكل که 
کارت د؟ جل کہا کہکیامیز با نک منودب ای ارب 
ےا رح دو فا ےآ پ نے ا ایا ضا كد ی تفت انش 


یم م 


5 جہانو ں کا لے ولا ہت ام E‏ 91 
یقت ہے۔ا بآ سے ادر بد بیت عامراورد میت غاص تقیقتکو چان لی - 


ول بت تا هم 
تال رب الما مین ہے اور یہد ہہ میت دوم ب سد و یت عام راود ر ابیت خا يكل 
رو بیت عا کے تخا پیت لالتعا خالق ہے اور یکا کات ا لوق سے -اب رب ہونے 
کے توا سے سے ان تال ا نکی پر ور لکرتا ہے۔س بکوہوا نیا جا سے كر ى سروک سے و از پان ] 
انا فا اسف کا ءر نی ےکا انا كرا سے بك زنرگ اكابقااور تر ىكز ار کا ورا رات 
ہرانسمان دا ادن وا كود تا ے نوا ول مان ماع فر مان و یاکافر ناف مان ہو۔ 


چا جب حطرت ت ابرا نے میت یرل اور راتسا وی مكلت دو رکر ن ےکی جورت 
۱ گی اس تصرف مسلا كوخا کی اورا 


اف له من ارات مَنْ امن منهم باه الوم الاجر (سورتبترمکیت۳۹) 
نکر نے دا نے جوا تھا لی پرایمان لا سے او رآ مت پا یمان ر کےا نکویچلوں سےروزىی عطافرا 
اشتعال نے جاب میں فرم: 
«قال وَمَنْ کفر قامتعه قَليلا تم اصَطره إلى عَذَابٍ النارِ وبس الْمَصِيْر ي( سورت بقره (ir‏ 
نی ہوک ےا کی دای نا ےک ہو ےک و دوک رآ ت میں ا نکوکفرکی مورک 
الیل ے يتان مودک تخا ربو بيت عامہ کےتحت رب وین ےس بک پا 


می‌ذطبات ۳۳ اتا لی ر بو مت عام 
یکافرن ےآ کک ہوا غ کات كلك - نوب شک یت تی لک روک شام تن یک یک سان 
ریس ے اور می ل کروم مول » جوا عضا اتخائ ےکی سادا نکود سے ہیں وت اعضاءكافر کی ہیں , 
کس یکافر سے یادن ركه اكيا كرا لآ هيآ ککان يآ تھددیا ہواورددسرے ےب رد کیا 
وال سبي باتک جاک وق تال رب العامین ہے اک لئے ایک جد یٹ بل سےک اکر اٹہ 
تال زک اس دنا تقیقت چرس ب کے براك مولى وکس ىكافركواي ککھونٹف إلى بھی دت ۔ 

تی جب دا ای یقت سے و کافراورملمان کال طور الکو خر بال زا سے 
یر لات عام >ه- 

چات 

اک یں اکتا ہندوستا نکی جک ہو اکتا کے کل را ناهد إن توهال کک 
کور ےکر نے رول کے اشارول سے تیار ہو کے تھے اس لے اکتا نوست موی اور سو 
وجور ںآ گیا ال پیا نے ہندوستان ال ونت سك وزيم اندرا گا نڑھی س ےکہا کسان ال 
تست »رتفا ہی ں کیرک وو ادان تھے اورا ن لکت موی اوران یا کافرقاو هگب بحر یکی تو ای کے 
جداب می ادا نیس كبا كاك فته الى رب العا من سل رخاو ےکی ضرور تلو ودب شاه 
تا کارب اذ ها رتدب ہے اک نے“ می کا می عطاك اورا اشتقال رب ملین ےی 
تاو »رو اورشكاي تر نے یضرورتدے۔ 

ربکا مہو ۴ 

رالد لو ہییت ام که یل یی مھت کرد بک نوم میس ےکچ کو ہت آ ہت ضف 
کم ات ےد رکال تک ایا رے _منا 9 )وتو كر ے اور مضا رود اکر ے۔ 

چنا نا دتعالى اورانا نقلي ل ی فرق ےک اسان ان موی کواکٹ ہک کےکوئی 
بر بناج كان برك وم جز يلص راق ہے اور ا تھا انال ی نین رکآ مت ہت هام ے اور 
۱ فان و يناك ربچھوڑجا ہے شا ايك چوا بچ ےا كوايك بوند إلى سے پیر ارتا ے۔ پھر جما ہوا خولن اوريجمر 
لش تک لا رکشت پپست اور پل تل ای انسان بل پٹ شل تاو سے پچ را لاو 
اله پیٹ نعل ا ررح ركنا س کہا كا منہما کی یل طرف اور چیه بال کے يبي كك طرف 


على خطبات ۳8 اشتعال کار میت مار 
و ا موس باد کرای ک کیب انداذ سے بٹھا ا ہے ادنا فک نالل سال سك رذ نکن 
فرح ے اور جب ولا کا وتر بآ با چا تكش جاتے يل اددج بيد کے یچ بر 
ارش رتا جک ےکیلے سا ن ےکی طرف ہوجاتاہے سب تاک بويت عا کا لے ور 
یں ابا گے کے لئے ز چو پیردوفول مشکلات ےدوچا روج کے 59 
ادتقا لی نےسورت یچس مس ای طرف ا شا :فرمایا ےک ہ: 
ول الانسان ما کفره مِنْ آي شیم عَلقة من نطفة له قرع لبیل سرا 
ين انان بر باد ہو ہا سے ییانشا ال تھی نے اس یز سے يبد اكيا؟ مش طف ے پیا 
کیااوریچھ را سکوانداز كر کے رگا او ریچ راس کے مکل کا راس تا سا نگردیا- 

وال انشتفال نے سب رات آسان کے ده رب الا ین يجب را 
ست کنا نزک مو ے اتی یآ ترا متا قوت عطا كرتا ہے ال کے پتافول سے اس کے ے 
دور کا اقافتا سے اور اس نو مواود ےے وکس طررع معا کرت ےک پا فو لكو ہونٹ اورذبان 
سے اليبادياحا سكسا رادود مطٹول شل جد لكل ف يدا ے بی سبد بد یت عام ک ےکر ثے ہیں۔ 

بی ت رای انا نک ہے انان ا کی راکرس ینمرا اور پہاڑکی ول را 
وبر دانات كك جب پیدا ہوتے ہی الک رما اتیل لد ابیت عام سكعلا ودلان 
كرست ے؟ شل 57 ایک بی جب یا وچا تا ےل رونت بحر وہ جل کل دورے جهن اورت اما 
کرنے کے ل بل کر پتا ناود س سوواط چو کرک 
رانک ایا سکرسلکتا ہے ۔ بی ری سكا ول يا ول ياد مرکو من می ئيس لیب 
صر فرك کے“ بن کے ہی خی کک پت نکر سکر لت ہے اورقا عاص لکرجاے صرف اه 
صرف انش تھا یک د ب میت عا ا كرشم و وو رب العا من ے۔ 

ار ایک مک یکو دحب اي بي كرا سد مارکر ںی ےو ا سکو انز 
ےک اب اناس بل پد تیار ہیا ہے ا کو یی انداز و جا جا ےک فلاں فلاں اڈ گند ہوک 
چوا د ساد دگرانوں سے وات کے ے چو وہں ارو مل 1 


چوزےکا سس رہوتا سے دوسا ا ئل حضہ سے قبس 060 ےک جوز کے ا نے مداد 
و بد ابیت عا مدکی رت و رکت سد 


میظبالتے ۳۵ انعا لی نی ر بو بیت عامم 
` یک رک جب اکا اسه ست تا ہز کہا لکد اس 
س ی بوک كبانس مول ےا یاب جج وا یکچوہ د ےک چوک رق ےنا 11 
یل جا اور پر ج اکر نمزم تور ا کدی سے یسب ابیت عامہ کر ے ہیں يمري 
ند سے رش کی شاخوں يهال انداز كطاقن دسية كار نا مشي ےبھی ا طرح 
یا ارات اترا وس با سب بویت عا افد رت ے۔ 
قصّے :| 
قلق 2ات سےمنقولل ےک لوگوں مب وراپ راو ڑا اوراس کے اتا ر سے الا کیٹا رآ مد ہوا 
نس کے من ہیی را اقا + سکوو ہکھار باق ملف لوگوں نے ال ط رح ققے نا ے ہیں _اى منظر 
اودر اميت عام کے نکیا باس ےگلستان ہاچ ات 
اب لب کر از زا نیب 
كر و 2سا وقد ور اری 
تیال راک کی و 
و کے با مان قر داری 
تن ا ےکی پروددگار اجس سه رذق فا نه يب سے بت ببست اتل تسس لکھا 
اج لأ ان دوستو ںکورزقی ےک ب رو مو سل جب لآب نول اور نان م سکیٹرو لكا خيال 
رکتےہیں؟ 
ال وتان كر ےو وشن کے ن بز ے اوردالی کےکسرہ سے ونان ہو اال سے مراد چان کے اندر 
داتشه بويت بر ہے ای دور بان 
کا 
حا لكي ان ایک ق ھا ےک ای مک ساب سے جب ا كوبجو کی سے اوركها ےکو 
کی متاق دون دو پہر کے وش کلم یران شس دم ریا ہو ہا ت سے اورمنہآسما ن لطر فر 
سا سكديا ل بای سے پرند ےا لول کهآ جا سة میں وراه جاتے ل - 
پت تی سانب اسل لیا ہے ريد ہہ یت عام ےکر ہیں۔ 


على خطرات ۳۹ اشتحال یر بویت مار 

ابت ۳: 

ينض وعاول یں مہ الفاظظط ا #ل»۱ وه رب جوک سے کے بيد ںکوکھو نسل مل روزى تيا 
ہے كت لک اجب ابت رال عالت بل اپنے تيو ںاود يناجا كبنا. جك يريرس تال ہی لب 
دہ سرع دسفي ترآ کے یں کیوکگ ال كيك ال کے پر لك ہو ہے یں ہیں اس دوران ہے سنك سبسبارامو 
جاتے ہی قا لکی چو سےکناروں مج بلا پیل اوش ر جا یمرک چ كر 
ال فرش سے :یھ ای ہی لكي ماد هعاس كول جز ج ۔ تون دي ال بل مكاي چرم کول 
دیا ے اور ںکوکھا ماکان ڈول کے بع یھ روا بوك د ےآ تا ہے یہ ول ما ماود مب الم 
جو الث تال یک طرف »وتا ے ريسب رب العا نک ربو بيت عام ک ےآ خا ر ہیں - 

<كاعت6: 

عام ول ل ای کم کے يرن أيك خا انداز ته یکی حدس كارو لكو یکر 
بی بکھو نض بناتے ہیں یرای نو /صورت عونا سا یرندہ ےکور فی عل خطاف اورا تللكت ہیں تج 
کوان مها كال نس ال جب تان ہو جا ہے و بے ہنروستان وال ع ايك 
فا پر ون تس رکود تاچ سے یت نکی بارخ ہوجائی ےلیگ اللو میں اس 
را کر تے ہیں ای رخ ہمارےعلاتے می ایک لود ےم و بل كيت ہیں الكل کو و بجی 
اور چوپ زرد كت ہیں۔ ی ز#ول کے ے بہت فی ر ہوتاے ؟ ہم نے شرا الى مول اور ترو لودب 278 
سج ادال کے تق شکا ری لوكو سے سنا بھی ےک جب سرلا ندے زی ہوجاتے ہیں تو اس پر 
کی کر پچ فول چ کید سی یں ی سے میک ہو جات میں ۔ یسب ال تا کی ربوميت 
عام ہے اوروالق دو رب لها تن ے اور مرج وا ناكازال ل تن ر کے ہیں »رش رب العا ن 

ارت 1 1 مت ام 

ریت ابو ره سے ددایت ہ ےک سول اکم نے فرمایاء جب الث تیال لوقا تكو پا 

رن ےکافیصیف ماد یا آپ نے ای کو بک ےکراپنے پک گر پرکود یٹس ب لمات 
5 رخمیی سَبَقَتُ غضبی ( ریف ص۰٣)‏ 
ین می ری رھت مر ےب پرنا اب او رال ےآ کے ہے۔ 


على خطبات 2 ارتا یک ر بويت عام 
حشرت ابد ٥ی‏ سے ایک اورردایت ےک تو راک رم ے فر ای ابش تھا ىكل سورکستیں ہیں 
ان میش سے تال نے صرف ايك رضت دنا کی طرف ناز ل فر ای جوانانوں جنات ءحيوانات اور 
شرت الاش بم ساك ایک رض تک وجہ سے روآ بل می ایک دوسرے پشفق تکرب 
زی 1ل سه ادداى ایک رض تک دجمت وش او رای الاد راف یکر ے ہیں ال تھی نے 
۹ رقتو لوا چا لصا هلق مت کے روز اپنے بندوں رای فر ما ےکا( مكلو وص ے۰٣)‏ 
ال حد یٹ میس الد تال یک جس ربوبييت عا کی طرف انما ره ہے یویر بد بیت عام ےکی 
سات القدتخا م عا مكلوقا تک رورش ف ماما ہے۔ چنا مہ ياك اور يور کے لے انا نو لاور جنات 
کےعلادہ و جاو رول اورورترول کے ولوں می شتا نے رصت عام اورشفقت رکودک ہے۔آپ 
ایک کمن وه تجو لوم ٹن پھر رق اور اج تيد ب ىكل ے کہا ن يول 
کاتصان کج جاے +درندول مس سب سے زياد رش سے کان مش يل پر 
> او ريش ا لی فو ظا مقا ات تمدق کتک خطر یں ہوا ہے اوراگ ری انان نے ان 
چو ديا ییا س ےک شی ری قريب یآ پا لک فی ہے اوركاول اوقرس دیہان لكو 
اجا دك کرد ے۔ برضت وشفقت اوري به ربالى صرف الشدتها ىك ریت عام کے اشر ات ہی کلم 
دورب العا ان ے ته تيس جب یهار دی ال سك بح دہ اس کے لوو ںکو 
انا رو کہ سكول انسان ال سكق ري بل جا کا ۔ صرف بو رتاشت وتا ہے ت کرای کے 
مولو سنك ولول قصان نیا-2 لک لوم نیو لیکو پ ھی دپ ين با کے ل كرك 
۱ لك كب قلا ورم جال سے اک طر کو ےآ اپنے يكال كل قا لت مرش کا تما بی جلول 6 لج 
یں یسب برب العا لی نکی تر بیت عا ےکر ے ہیں ات ماو خاک طرف ان ارام 
“ل اشاردے۔ 
کات 
ما مرکا ی کیان سك ایک دنو رتم کرم کے پاک ٹیش ہو ےک اما تک ای یآ دیآ ج 
اد بل لپٹا ہواتھا ارات تلاو زاس نے پیٹ یت کی دہ که اللہ کے رسول !نخس درضوں 
کے ایک ل سےگزرر کہ نے داں هنس کے بنذو نهذ س بر اد 
مس پٹ لبا NS‏ اودر اويكو نكل یں نے چوزوں سے چادر بال تو 


ی خطبات ۳۸ انال کر بیت مار 
چوزو لک ما ں بھی جوز ون بر كركرى یش نے س بويا در س لیف ليا جور سے يال ہیں و رارم 
نے فر ا کو رکودو۔ میس نے رکددیا ان چوزو لک ال چوزوں ےی مو لك حورا 
نے رای اک کیام چوزو نک ما ںکی اس شفقت پ تج بکرتے ہو؟ ای وددگار عال مک اسم ننس نے کے 
رن نی بنا کر کیا یتین اٹہ تقال اين بندوں پر چوزو لگ ءال سے زياده رباك ہے - پچ رآپ نے 
فمایاان چوز و لکو مال سیت وبال جاک روز ده جہاں ست هزاب چنا موہ نے کے - 

کم دوم د بویت غاصہ 

بی جو يك كع ایا سے انتخا یکی بويت عامراور يرورش عامہ ےکر ہے ےا بق اشارات 
ٹیس اترتا کیا ر بو بيت ناص کے با اتکی ملا حظہہول »ر لو بييت خا ص اٹہ تیا یکیا ال7 بيت ناض 
کانام ہے ج الث نال ا سے بندول يل سے ا نکودیتا ےج کو چا بت ہے الت بی تکوم برایمت»راهآ» 
يمان اوراسلام کے نام سے یا دکر کے ہیں - 

جنا ناتتا نے جب انا نکو پیداکیان ا لک ہو کے لے اش تا نے مھ سط رم ارگ 
اتتا ری اور جیا تیا نی نظا مک ظا فر مایا اک ط رح الد تال نے الک بداييت اس کے اھان اوران کے 
اسلا مکا تام کی فرماديا- جنا نج الد تما لی نے وعد ور ما اک ج بکک می اپنا رسول کول اس وت 
کک ىوط ابی دو لںگا۔ارشادعال ی د 

ماک مین حتى بت سول 
ن ہم ج بت اوی رسول یال ویک ک لعزا بآ رن گے_ 

چا الد تا ی نے ہدایت کے لے رسولوں اور انیا ءگرا م کا ایک طول سل قرا 
ول نے ہدایت سح ہا رکد سک اس کے مات حالس ےمان سے ہدایت کے ل ےکنا یں 
انار یی کلف یه نا زرل فرماۓ ار اج رام کے نان کرام کوک کیا يمر مت حجر رکون وی 
رمت کے حت رع لى بطور ی علا کیا یرب میت کات بدا بر مول ریا حور 2 2 
زنده وجا بنلدہ ابد یج ز ث رآن عطا یا او چاه کے لئ علا ہکرام لو بيد اکیا۔ بر بيرت كنت امت 
و7 كو بيت ال عط اليا يا جہاں مقام ابرائیم سے اليم ہے تم ہے تجراسود سے ركان يمال اداه 
زم > جبال دعا يل ندل و پر مفا مر سج رات ہے اود کی كات ول ۸ 
مي نبو یکا نو اب ۔دہاں پر یش اکے ہے بجنت ال سوق اب :لی ,رس 


هی خطبات .- __ ۱۳۹ ادتقا یکر ابیت عام 
ساو سد قباء سے بسب مق دل مقاءات ہیں جہاں دعا ل قبول »ول ہیں اور ای‌طرر اص تھ او 
ا وق تک نماز یی عطا كال روز ےد سے کو قات »سسا پد درا كانظا مقا مکیا۔ عو طاکیا هر 
و حیرعطا کی امان ديا »ان عط اكيا جود بو بیت فاع سک کر ے ل - 

ای لے تال رب العا ن ن تا م ججبافو لک رب ام ابیت خاک ذمسدار یگ 
ا یکی ے۔ اغلا قات ہے مسلمرافو ولو از مار اصولول س ےآ کم فر ایا ۔ علا لکا کے لن مل 
الصا دک نظا معطا کی -آداب معاشرت اورزتر یگ ار نے تام ام اصول عطا کے »اه جزوں 
كما ےکا ضارا عط اکیا۔ ملا ل کیا نے اورعلا لکما نے کے بتر نو اع عطا بی سب ر بو یت خاصك) 
ہکات ہیں - الغ الد تھا رب العا ان جر بویت عام اودر بد بیت خاص دوفو لك مالک > 
ساره جہا كايا لے والا ےلہنرامد وشا ا كاذ الى ہے »رون پلا ذم چک وہ ا یت ری فکمرے 
مد کر اطا ع تک اود ہرم ب یک كن کے لئ ہروقت تیاررہے۔ 

۳ 

ال ورک پٹ اورسارى فصي لكاخلا ص كا این پا كدت انی نگ کے برش شل ال 
توا م كواينا مرفي اور بلك والا ان لل تم کید ها ںک رو زک سے وال صرف ايك تھا یکی 
ذات سے لا تم فیرول سل دروازول وی سك جد هدك إل »یرو ںکواپنارازقی نہ تال » 
ر ابیت عام میں ثرا یتح یکوش یک را سم کرت عبدالقادر جیلا یکا 
راس یافلاں فلاں جزرککھارپاے۔ 

ا سکیا تیو اتج ہم اپ اولا وک موہوئی رذ کی فرش سے دوز خغ كاك میں دول ءا کا 
مطلب ےکا كوي يم ند يل مل سےا نکی آخرت تا وجالى ہوضلا جوان بجيال بان یلوط 
قير ےک ھجت ہیں اور رکب ارو نارکا می کی ؟ یہ 
مایٹرکیہ هال سےا تھا یکر بد بیت عا كأ مول بتكيل ویو کے شل 


ھی نا جا ااورترام ے۔ 1 
اذ تال یں اپ ربد ہی ےتا اكلام ا كديا ره روک 
پا رآ یں سر جمدلا یگ یب - 


2 ہے خر مر اوو و نخس ٹیو ع ره و و رحو رو عم ”شام 3 8 
فل اننکم لتکفرژن بالدی خلق الازض فى يَوْمَيْنِ وتجْعَلوّن له انداذا . ذایک 


على خطرات . ۵۰ اشتعال كا بویت ماز 
رب الْعَالمِيْنَ ه وَجَعَلَ فِيْهَا رَوَاسِىَ من فَوْقِهَا زبرک فیها وَقَدُرَفِيْهَا افوا تها فى اربع 
ایام د سواء | سین ه نم موی إلى السَمَآءِ هی ذخان فقال لها و للاض ای 
طزعا آزکرها ه فالا ین امن © فقطهن سَبْعَ سَمُواتٍ فى يَومَیْي رای فی کل 
سَمَاءٍ مرا ط وريا السْمَاء الد بمَصَابیٔع وَحِفْظاً ذلک تَقُديْرُ اریز للم دہ 4 
”آي كبرد تکام ال الک فار كرس مواور دوسرو كوا یک تپ اور برا کر ست موس 
نے دودن یں ز عن بنا ؟ مب ہے جتهافو ل كايا ك دالا (اوراى نے )ز طن بے يعار يها اوت رسك 
اور جارد غل ز ين کے اتر را لكل یں او رخورا يبس مقر ركس ل جن والوں کا يتيك ٹھاک جواب 
سيراك ورس افو لكا قص کیا ادرو ایک دعواں تھا بل ال ن ےآ سمائن اورز شن ےک کے 
كات یا جر ےآ وولو نے با ہم فق ےآ کے ہیں -+ل ال نے دودن مل سا تآ سانو كويناديا 
ادد برای ےآ عا نک لک كا مسپبردکیااددم نے د تاوا ےآ سا نوج رامول سے مز کی اورتفاظ کا احا م 
کک اکیا۔ ری جسن وا سك اور بروست (پارشاه) كاانداز هاورمقرركرنا حي" 
اشفا ہمارے فلا ہرد با نکی اصلارح فاد ادرا ی ر ب یت نا ص د عام كك تراق 
عطافرمادے :شع کر اپٹی اطا عت براستنقا مت عطا فر ا ےآ یکن یارب العا لین ۔ 


على خطبات اها صرف ایک ر بلوپکارہ 
می ےا جمادى الال 9۹ے 09ء م يدشر ماس رو كراب 
موضوع 
صرف ایک ربو كارو 
مار ارم 
الحمدلله وحده والصلوة والسلام على من لا نبی بعده وعلی اله وأ صحابه 
الذين أوفواعهده أمابعد ! 
بإ فالا ربا طَلَمْاائفْسَنَاوَ ان لم تغفرلتاوترحَمُنا کون من الْحَاسِرِيْنَ» عراف ۳۳ 
"ولد ن کمااے هماد يرود دكار ! تم نے اپنے اوير زياد ک جل اگ رآ يتل موا ف شک یں اورم 
برحب ريال فا او نقصان اٹھانے والوں مٹش سے ہوا يل ك- 
رصنا بالل رب وبالاسلام دا محمد صلی الله عليه وس شزا 
تخل رب ہو ےکی حثیت سے رای ہیں اوراسلام بد ينكل حيبت سے رای بر ۱ 
کیت رسول راک بل - ۱ 
كر م ضرات: 
رسلا ناوچ ب كوو مصدب تک باأكل ابتدائی عالت بل اپ لوجاک ر بک طرف موث ده 
ج ورگا ر عام رصاحت روا وشک لکشا ہے ۔اگرمیب تك بل بنده راک رف ”وج موتا ا 
سلما نکی توحیر ےمان کول صل انقباراى ابتائی ما کا ے شل ىكس پل ات 
سیت آل ےا کوس کی طرف ےتید بر کو وات 1آ اورا كن کاخ لو رآا ی طرف 
جا ا ےک میا بھائی فلاں مہ بڈااضرے فک یکی یتر اکر ہے وہ کے میت ےکا ےک 
ال خیال اوراس طر ر کوشا عبدالقادر جیا نے حیر کے متا تر اردیا ہے ووفر مات بل کمصیبت 
كيبل عالت می ل تمہارا خیال ابش تیا یکی طرف جانا چا يت جو حیرکا الل مقا م ہے وهال طر کاس 
مصیبت سے یھ صرف الل تھا یحجات د ےک اگ رتہاراخیال کی اورک طر فگیا وم نے فو حید كمال 
شر کا رکا بکیا۔ ددفرماتے ہی مسا نكاد آ ےک جهن ىك رر ہونا چا ی كال لوا 
تال کے اور یکا لھک نابن نیک ہنس طر نک میچھنی می پا یھ رکوس کا ۔ 


على خطبات ۵۲ صرف ایک دبك ركارو 
حفرت کی“ کے اس مو ظط مطلب یهار تتا كاذ کہا رک بان پر الما چ ھار ہنا چایے 
کہ بوت مصیبت وو کو دز بان پر الد تال یکا نام جارى مو ہا سے كوت مصيبت کے وقت ز بان ير وتى ازیو 
یراتا ری طور پآ جا جا ہے لس آي نے ال ز با نکوعادکی بنادیا ے شلا لفط رفظ رب کے علاوہ 
اگ یکی بان ييا ع كبدالقادر جذ ھاہواہو يا حت يت ا رسول ال کی پکارز باك ب چ اموا مول ميرت 
کے ونت بی لفت آ سک کر ل موق 
عالت قرش براقا رک يارد اقا کدوک کرد رد رس یال 
بیٹھا سے کیب دا ےک یاد ہا ول - تی خط ناک سورت مال س لآ خر وق می را 
در ہا يان ان لديم ان کے بول سف دک چنا فراع حط رت ام رضا زان صا سح 
یداد کے بارے مل فر مات ہیں 95 1 

فیا گود می میزان شل سر يل پل 

۳ 7 با ے داان محل 2 

أل قا سےکروں فش کہ تيرق سے پناہ 

ندہ جود ہے فاطر پچ ج قضاتم| 


( عالق تش ) 


کک به كك وال 
۱ تال نے مسلمالو ںکو لل هد نی می تلم ے اورت ئیآخرزان “ی 
شید سے ای امتکو نیم دک حضو کر 907ئ0 ریف کی اک ےل ۓ ےک 
مر رب کے یس خلا مق راوس کی کیک کا کے رم 2 


آپ سے اک جارات سک 20010111 


می خطبات ۵۳ صرف ایک ر باپ ارو 
نار مال 2-12 هوق فا کارت ےکا لکر فان ی مات جیا ی اب و كك 
انا ارک را مکی تلا کیا - 
حضرت | ہوم علي راسلام نے صرف ربكو كارا 
شتا نے حفر تآ دش کو يداك کے جنت میں بای نارای اگوی فیصلہ اس ط رح تی 
کرت رم او راو( دوم ونيا مل بسا لک جن ت ا نکی جک ےمان الکو مات منت ومشقرت 
کے لق س دو لكا جب وتا SENNA‏ میس کے برا نکوان کیل کے مطا بی ج دو ںگا 
مک مقت يلل ل مول جن تك لوگ ناقری 27 ۔ جنا ادم | ای کی باداش میں جن سے 
دا طرف د سے گے چکگ بجنت می آپ سس نو گند مکھا ےکی قوش وچ یھی اس يآ اللہ 
تال سسا ست دنا میس دوس ےکی سا لج کہ سس چوس یہ 
اس ر ے حر تآ وئم نے اس ميب تک عالت يل صرف ایک ربكو پکارااورغ مار بنا اے ارس 
رب اے ارات يا لوا هاس پر و رر لک نیو ال ہم نے زياد ل گیا سے اب موا ف فرما۔ ادتقا لی نے 
مدا فكي كديا کلف رب وہ لفت ستل سے او تھال کی رمتو لكاخز ا شحولا جانا ے الا ربا 
ظَلَمنَا ار آیت بمعة جمابترا شآلود ىك ے۔ 
حر تلا نے صرف رب لو پکارا 

حرس فور" نے ابی قو م کے سان ال تال یکی وهای تک سا ےو سوال ت کک کان 
کم ویش 1۸۳ دی ايمان لے اود بال سب شرک برقائم دسج انبول نے مرت فور" کو بہت 
يذ ال پیا میں بار ایا ماليال ديل اور بات سے سے صاف ا کارکردیا۔ جب فو" کوانہوں نے بہت 
ت کیا و آپ نے اپنے ر بویا رادراب 

رب ان کم کلب اےمیرے پروردگار ام روم نے جھےکھلادیاے۔ 

اس کے بع ر را سے ر گرا یط رارقا رب انزنی بما کین 4 «مزمنون) 

اهر ےرب میرک یرو فرب کوان لوگوں نے كلاد يا ے۔ 

پھر ج ب ق م حطر ت فور رگ ديا وا ولآ دیاز حطر ت لو" نے مرف اپتے 
دبكوايق هدك كيرا فرمایا قال انون و اجر فو نے ےہاک یداہ 


على ذطيات ۵۳ مرفايك ربكو يارو 
رک را ا طفة عازن نی قفاوت از (ف) 
بطرت فو" نے اس ر بکو ہکا راک می و موب ہ کر عا زو سبال مول بل رکی مد وربا 
رترت فور" نے ان وم لاف بددعاکے لے اه رب پیک ہکا رکرفرمایا: 
ال نوخ رب ام عصونی ورام مره مَل وله لا خَسَارًا 4 وی 
اےمیرے يرود دكار ! سے تک انہوں نے می راکہنانہ مان میرک ناف مال یک کے ال نکی جات مان فی کو 
اس کے مال واولا و ےتقصان کے سوا ری ذا مد كال ديا- 
وَقَالَ نوخ رب لَاتَدَرْعَلَى الازض من الکافرن یار ضرح 
اورف رس کہا اے میرے پر ورد راز کن يكافرول یش سے کی کو چو ڑا - 
ال کے إعدتطرت نور نے عام اون اورا ال وعيال کے لئے د پکوا یط را 
طرَبَ اغفرلی وَِوَالِدَىٌ وَلمَنْ دحل بى ما وُلِلمُوْيْنَ لمات سب 
اے تیر سے اب نگ اودمیرے مال با سكول دے اورا ںکوچھی جو یرس ےگ می انار كر وال 
ہے او رمف ان مر دوں اوركورو لک وه اور مو کو ہر پا ری فرب 
ال بح رترت لو" نے اين بے سک تال اسر بکو ییا رکر فر با: 
زنادی نوخ ره قال رب ای من اَل وان وَعَذک احق و نت کم 
الا کین . (هود) 
“نرت فور نے اپے ربکا رارك اعيرس پر ود دگامراٹا مر ای ھی یش سے اورت 
ود ا ما3 سب سے بذاما/) سج - ۱ ۱ 
حرست ا رخ نے ہنع ر برش عل اپنے ر بکو اراس ال کے زر یی ےق رن ٗیا 
دس با جک یق گیل طلات شل سين بر ور رتیت کرد توج کے ہیں - 
خو ! سن ے ہر الل ہا 
پا 3 اج 1 رال 
ہے اٹ هد کے وال 
ا سول اللہ کہا پھر تح کو کیا؟ 


مین ت ۵۵ صرف ایک بک پارہ 
ہے ہے سے سے سے سے ہے سے سے ہے ہے ہے ہے سے ہے ہے اا ہے ہے يي ا 
سني جو اب دی کے 


لك ۰د 
کک 
ی 
۰ 
5 
3 
KK‏ 


خالق ۳ و مان کو جوز کر 
ضير سك ور بر جا پھر تم كو یا 
رت لور غق مک رقا کے اع سے ات نے اور من پآ را کی جک لے وراش تال 
گی رہتوں کے شال مال ر غ کے 2 کار باوای‌طر یادا 
« رب انز یی مُنزلا مبَارَ کا وَانتَ خَيْرَالمنزِلِیْنَ4. (مومنون ) 
اےمیرےرب مج برک كيس تدا تاره اورآ پ مبتراجار سنا سل 
حضرت بو بھی صرف ابل ربكو يكارا 
رت وکوک یآ پکو تسایر طر راک ای ال دیب اکآ پک طرف 
چوک ال طررح سس ت کی : 
بان و جل رار عَلّى الله 3 وَمَا نحن له بمومیین 4 (مومنون) 
ی ایک سفت ر یآ نے ال کے نام سوم بات بر اس ببايمان 
لاوا ليل 
ال کے جاب يبترت ہوڈ نے اپنے ر بکومدد کے لے اعم رب پکارا۔ 
لقال رب انصزنی باون موسرم 
ایرد ان شاب کرد 
اتال نے جاب رترب لوک زج تک چت یں گے۔ 
قال عم قَلِيْلٍ ضبن دمن 0 فَاحَدَّتهُمْ الصَيحة باحق فَجَعَلْنَهُمْ اء #برسرن 
شتا نے فر ماپ وی در سك بعد ي فود نادم ہوں برل اي كك آواز نے سے وعده کے موان 
۲ رم سناش ونا شا کفکردیا۔ 


على خطرات ٦‏ صرف ايك باو ریارو 


مرت صا نے سب يورب سے ما گا: 
حعزرت صا" سايق سارك منت الف تھا کے جوا 9 
تچ رب کی سے اکا لبون کا را کیا 
هو الله وَطِيْعون وَمَا اَسألكُمْعَليهمِنْ بجر ون جى الا على رَبَ 017 
یی ال تھالی ےڈ داور ک اطا ع تك سك بات بو دنمس ال زدور كل با گر 
مرک اردور تقل رب العا نت چھانوں کے باه وا سل کے مہ سے۔ 
جد الا نیا محرت ارام نے ہر مور ا کے ربكو زكارا 
تر نیم جس لفظا رب بہت مقامات رياس سط رح لفت ان رت ےت ر آن میس کور 
ہے اك ط رب لفظا رب گی بہ تک ڑ ت سق رآن می سآ یا ے تن انیا ہکرام اپ دعا کول ءپکاروں 
اورضروریات شل لفظ دس بكو استھا ل کیا ے ان دل سب سے زیاده خطرت ابرا ڈیم " نے ال لفظ کے 
ر سے الا ہیں ۔آپ ہیں سک تا کی رت ناجنز دسا سکوکھو لے کے 
سم لفظ دب سب سے يدق الا ہے۔ کی جع کلام كلها کرت بای یرب اب 
اب ياب ياد بکہکردعا اکنا ہے الطدتهالى ا یکی دما قول فر اتا ہے _علاء نے سور تآ كران 
کی آیات۹۵۲۹۱ ليا سب ال پا اقا رتا سے دعا كاذك اور یھ تھا بکا لف ےک ال تھا 
نے ا نکی دا تیو ل ف مکی ۔عر یات لک رب ہوں لحار : 
لین بذکرژن الل قبسا هرد زعلی جنویهم یرون فی خي 
السموات ژالارض ربا مخت هذا بَاطلاسببجا بُحَانك فنا عَذَابَ النار 5 رَبنا! نا الک من 
تخل انز فد اخزیته وما امین من انضار د ربا انا سما منادب ناد لا یمان 
أن امنزا رتم ات را طبر راز گر میا ومع زار ط 5 
وا وَعَذْننا على زسلک ولا تخر رم اة الک لا تلق مياد" رجا 
مار“ 
مم رَبهم انی لااضيْع عَمَل عامل نکم من د ذكرأوانتى» (آل عمران) 
ا بے اوران چنیا تكولا فا من تفر تارب سنا سن کارا" 
ے اور ايك يالف دب اسقعال ف ياسع ركرك ری ا کی روا اور ری ترآ و 


ی خطبات ے۵ صرف ايك ر باو ارو 
حطر ت ابرا ت نے اپنے د بکو ا لط رح پکارا۔ 
موا 2 اللہ کے لے دعا 
ین إن گنت مِنْ یی اد عير ی ززع عند بيك الْمُحَرُمَ © رین لیم 
لصو اج افيد من الئاس تَهُوی له وَارْقهُمْ مَنَ الَمَرَاتٍ للم َشْكْرُوْنَ 
(tos)‏ 
اے ہمارے پر وددگار اش نے تیر ےک رکعبہ کے پا ل ای کیک می ران تلاپ اولا ا بادكيا ے٭ 
اے یر ےراب برا ےک ونماز بل قا مک يل بی فو وگول یں ے باج کے دل اس طرف برد 
ک وہای( کم )کی جاب مال ہوں اورا نکوچھلوں سے رزق عط اکاک یش رگ ارتل - 
خضرت ابرا مکموٹی دما این 
له هل َعب ی عَلی الکتر بل و اشحاق < ان نی لَسِمِيْعُ 
الذْعَاءَ ٥‏ رب ب جعلیی مه مُقِيْمَ لصَلوة وین یی ریا وتقّل دُعَاءَ رن اغفرلی وَلوَاِدَىَ 
رللمومین یمقر الحتابه 4 (راگمرل۷) 
سبال ربل اس اللتھالی کے ے ہیں جس نے نك با ما لاس وال دہے۔ بے 
شک مرا رب قينا دعا دا رلا حل دالا ۔ اے یرس رب مک ھکواور می کی اولا دک خماز قاع م كرس وال ما 
دے؛اے جمارے يرود ذكار !مارك دعا اور يكارلاان نے ۔اے ہمارے بور کارت اواو ر سے والر ی نکو 
ادر ہار ےمومنو ںکوصا كنا ب کے دن بن درے۔ 
صرت اب ایلع رتم وق تتص وی رما 
ور رقم ابراهیم الْقَوَاعِدَ من ليت وَإِسْمْهِيْلُ ربا بل منا انک آنت 
مغ ی رت وت منت لک زین زیت ابا لك رات یک 
زب عَلینا إلى | آنت التزاب الرحیمه 4 مقرم 
نت قعل ذل ے چپ ابرا مورا لک ارگ بنياد بل اٹھار ے کے (اورف مار ہے حك ) اے 
7س برو دكار م سے قبول فرما ے كيك فو بی حك ولا هاستت والا ہے۔ اے مار ے رب گیل ایا 


على خا ۵۸ صرف ايك ربو زيار 


۰ 


7۳ وار یاون جارس ےط ہے تاد اود مھا رک تو تول فر ما سکب روگ نیا 
یت رم دالا س>- 
بعش ری کے لے صو ی رما 
ربمت فیهم رَسُولا مَنْهُمْ را عم اتک وَيُعلِمُّهُم الكتاب 
وَالْحَكُمَة وَيُرَكْيْهِمْ 4 «قرم . ۱ 
اے ٢ار‏ ے پروررگار !اوران عل ايك رسول أل یں سے دب جدان پر تیر یآ تقل پٹ ھے اورأئل 
کاب اورواتا یسکھاے او رال پا ككس بے شیک او نی فا لبكمت وال سے - 
زین دسا نکر ب صرف الل تھا ی > 
قال بل ریم رب ال موت ررض ال فطر هن رانا على ذلکم ین 
الشَاجِدِيْنَ4 (انبياء رکوع ۵) 
ارا م ےق ر مایا( ہے ہار سب کل ) بہار ہے وروگ رز ينول اورآسافو لکا پر وردگار کی نے 
ان سبك پیر اکیا ے اور يل اک با تکا تال مول _ 
کی اب شک لكشا له 
اتهم ذولي إا رَبٌ الین ہ الَذِیٰ عَلَقَِیْ ] 
یی ویس ه واذامرضث فَهُوَيَشِْيْن ه وَالِّیٰ یمیلع يُحيْنٍ و والذی امم 
آن تغفرلی حطِيّْئْتَئْيَوْم اللَيْنِ ٥‏ رَبَ هب لی حم رالْحفیی بالصَّالِجيْنَه» 
(شعراء ركوع ۵) 
اه ےر اهلاس اناد نکم عباد ترس وت مکی او ہیا ےبڈ ےکی سوده 
مرس نک ہا کارب جن نے نك ها بل دی مك پیت دجاس وت یکلا ہے اور پا > 
اور جب ل بار موا ٣‏ بو لوا نك شفاد تا هاورو کے بار سك او رز و كر ےکا او رض ے کے 
ول ےک تیا مت کے دن مر وی سوا دا ےگااے مر دب دے کم اور يلو نكا د- 


على خطبات ۹ مر ف ایک ر بو رکرو 


چچس جج تسس سس وس سس ی 
خرت لوست رف یک ر بک عباوت كل كليم دی 
رت لوسرل جب نیل میس ساپ ےل کے اند راش تھا ىك وعد انیت اور 
یکا درل ديا آپ کے سان یل ل جو دوسر ےگرفارشرگان تے انہوں نے خضرت نیس نکی 
محصومیت سے متا ہوک مسا لكا سوال وجواب شرو كرد يا ا فرص ترذ تب ر حط رت پوس ف ے 
مسائل مچھانے سے يمل انق یکا تید بحاي چوک ای لاع کے ہا ںی رب تاک ل عباوت کے جاتے ے 
مو ےبڈ سے لبود »و2 تال لج حخرت لیسفت نے ا نک ماد اک حاجنت روشک لکش 
۳ بإندعاجات یس پکار نے کے لان ادن رونیاز ارچ« > مرف ایک رب ےارشادے: 
يَاصَاحِبّي الجن ءَ باب رفن حيرم لالج لها 0 مَاتعْبدُوْنَ مِنْ 
دونه الااسماء سَمَیَْمُوْقَا آنتم بتکم مَانَوّلَ الله بهاین سُلْطَان دان الخکم له ه دام 
الا تالا هالک البَيُْ لیم لکن اکترالناس لایلمو د( (بسف رلار]۵) 
اے قیخانہ کے اتو !کیا را راک بت یااکیلا اللہ جوز بروست ہے ؟ م اس ان کے سوا رل 
لوج مور چت دنا مو ںکوجوقم اورتہار ے باب دادوں نے مقر رک ے ارت نے ان کے تخل لو 
یی اجار اذك سوك ىك اتيش ہے ال ےکم دياس كمال کے سو اس یکی عبادت نكرو دج یج 
دين کین !رلوکیس ہا ے۔ 
مرت سفن خا کے لئے ر بک كارا 
رب قد اتیشبی من الم وَعَلَمعَِی من تال الحَادِيْثِ .فاطر السُمٰوتِ 
ررض آنت وَلِيّ فى انیا الاجر توفیی مسا رَلحفیی بالصًالجينَ ررد ركع » 
اے میرے رب و نے مومت دی اور خوابو يري بھی سکھایا سب اس هآ ميال اور 
زین کے بنا ف وال إد ناوا زت لاو دی می را کا راز نك اسلام پرموت دے اور یف کل 
ٹیش شا لكردت- 


حر موی" نےکھانے کے لئے ان ربو هارا 


حضرع موی" نے جب عرس ری تک او رآ کے د نكا سفركر کے ل بین ار آ يونت 


على خطبات ٦۰‏ صرف ایک ب دارو 
بمو لكوك اور بہت زیاد كك ہو سے تھے پر بین کنیل بر رت شعی ٹک يجيا ل وت جوا 
کر یوک ہنی لا نا چا ہی ما قم کے نا مکافرا نک يال ری بآ نے تلد ےر ہے تھے یی 
دی ےکر رت موی“ نے ان لكو كو رو رک دی او رکو یں سے با ری ربا ان بجيو کیج بولک 
ال یلا دیا او ریک درضت کے ہا سے یش هاچ رب سے الط کھانامانگا۔ 
«قسقی لَهُمَا تم توی ای ال َال رب ای لا لت ای من خير یر 4 
(سوره قصص) 
بیان کے مانو رو كو يال پلا دیاء رسکی طرف م ٹک رآ یاو کہا سے تی ر ےرب !5 مرک طرف ج بے 
(کھانے کے لے )اتا رد میس اکتا موں۔ 
مایا بر ےا کے مراب ے 

ج تر وی" کت م نے د یھ اکآ گے در یا ے اور يك سح رکون كنك دالا جل بایت 
ریت عام علق موی بقل اخاب مُوْسئ انا لمر کون تنم کے 
اتيس ن ‏ کہا ہر يكذ ے گے؟ رت موئ نے جواب می فرمایا قال كلاإنّ مسعی ربی 
یی ری 

ن مر سے سا مراب سوه کک را ست تا سے کاود یھ رکز رکون کے لر یں یڑ کے ۔ 
حر موی" ASE‏ 

ھر کے خن نے الد بی تکا و کیااک یکن ٹل ال نے ابآ پکوسب سے باب 
نا اتا دراهلا نکیا تی کر تہارابداربہول۔ «فحشرقنادی قال آنا راغلی ) 

ضر ت موی نے جب فركو کات دسج وس فر ماي كرتم دوٹوں با رب العا نک 
طرف سےرسول :ناک ریچ کے ہیں ال پفرون نے اتا کر ے باق سا عون وضا زب 
امین بيد ب العا نكي جز سب حر موی نے فر ما اک فو لز ین اورای ر رمان 
جو یھ سے سب کا پر وردگا درب العا ین ہے رکون نے الل سک وگول ےکی سفت ہو ؟ ححضرت مو 
نے فرمایادکیہاراادرتہارے لک گآ با یداد رب ہے فرگون س کہ اک بے شک سول جوظہارے 
پا کا گیا سے دیوانہ جنرت موی نے فر اباو شرن وخرب اور ج ہے ال کے درمیان ےسب 


غات MM‏ صرف ایک ربو ركارو 
کارب ہے کرت شل دك ہو۔فرکون نوک د ےد یک اکر سے سوا ی لواحو ای 
ميل یں ڈال دكا ال رت موی نے ف رما اكد جا قباد يال ایک روش جزلا ۳ 
ریت میس ڈ الو گے؟ فركون کہالا كر سے وہ اس بطرت موی" ری بضااورعصاموئ 
کار ثرا “كل سے فرگون لا جواب م وگیا۔ رتیت موک نے اچ د بکو يكار کاس میرے 
پروردگارف رون کے مال متا كوتبادفر ما اتا لی نے پک رک نکی 
سرز س شام او رن میں لوگوں نے نل کے نام سے ایک بت بنا یا ھا جوسوس ےکا تھا اورم كز 
لا تھا ینس کے چا رمن تك اواك خدمت ئل ہروقت پا رسوضاوم گر سے کے ۔حضرت اليا كوم 
یرل سكعلاو وتحصوصییت ےک لک اکر یھی ۔حضرت اليا نے ای تو مک مدیم لو 
یار سے ہواوررب العا د نکوکچوڑ تے ۶ ؟ چنا ارشادمواے۔ 
وإ باس من الْمُرْسَليْنَ ال لِقَوِْةِ ا لا تتفزنه اذغ بعلا ورن 
خسن الْحَالِقِيْنَ ه الله رَبَكُمْ ورب ابائكم الوَلِيْنَ 4‏ (سورمطفی۳۳) 
الا ار کے رسولوں میں سے ہیں ده وت قال زكر سے جب ال نے ايوم كيام خدا ےکیل 
ڈرتے ؟ كيام ب لكو يكارت ہواورسب سح کہ موز ہو ہو( یقت يل ) لته را اور 
اد كه باپ دادو کا پر دردگاد ہے ا کو پکارنا ياك - 
حت الوب نے مشکلات می ایک نیا باو پارا 
حفرت الوب سم مبارك ع کت تم کی یرگ یھی بر ہونے سے پآ پک سارک 
اولادم رپ تھی ,مال ضا ہو چک تھا۔آ بك ذال ضرمت کے لے صرف ایک دفادار یوی رهق کیا 
أب انال شلات میس تے۔ ان تام شلات ساكل کے لے صرت الوب نے جس رب ویر 
تو یں بھی جا ےک ابلى مذكلات بش ای ر بکو پر اور ا ر بكو و كر ور ورك وکر یں نہ 
کی نع د بی ر نکر مک الیم ے اد اٹ یکا م کم ے ۔ارشاد پاک تقال ہے۔ 
راب إڈنادی زب ی مسیی الصروآلت رم الرَاجمیْنْہ اجب له قکشفنامابه 
من این له رم مَعَهُمْرَحْمَةمَنْ عدا و ذگری لِلْعينَ» سورت مب ۳ 


على ذل 1F‏ صرف ایک یار 


یت 
0 = 


مك ت ال۔۰ 


وراک کر کے بی نہوں نے (شد دلیف کے بعد )يذ د بكو يها راك ول لیف ری 
ہےاورآپ سب راون سے ید وع بان یں ہم نے ا نکی دعاو لک اوران اجکی چیا کودورکر 
دي اورم نے ا کرا اکن عط کیا اورا اتی ان کے سات اپ مت سے ارگ دی اور( اس یل ) عبادت 
کر نیوالوں عمجت 
۲ ۰ ام ۰ ۴ ۷ ۰ 
وي ضرر کے 2 تالوب نے اي ربكو رار 
۳ اور عَبْدَنًا یوب افنادی ربه انی مَسَّنِىَ الحَيْطَانُ بنضب وعذابه 
از کض بر نحلک «هنذا متس بار دوراب وهُا لاله رهم مهم رخمة نا 
وذکری لاوّلی الالیاب (سوره ص آیت ۲۰۳۱ م سامم) 
اور تماد سے بن ے الإسبكا تکرہ حك جب ول نے اين ر بکوپکارا الرشيطان نے ب لوررع اورآزار 
جیسب( تم ہوا )انا يدل ذ شن ب دیاس اور يي ےکا ا يال ہے اورم نے اا نکوا نكاكنبعطاكيا 
اورا تما ہی ا نکسا رصت سے اوركق دیا مرول لئے (مہ )ضيحت ( كان ) ے۔ 
٣ ۰‏ ؟ لہ 7 8 
رت لیا نے ہنا ی علومت کے لے ايت ر بکو ركارا 
قال رب اغفزلی وَهبْ لی یی لاح من یی اِنک ات ابه 
ایا میرے يرود دكا ر! موا ف فر مااور هیوست عناييت فا جور بعدك ىك شایان شان 
ن٢‏ كلا بہت ذا نای تک نوالا سج جرتم نے ہواکواس کے تال کر دیا کے وہ ال ےمم سے بک 
رادتقا 
5 هه ۴ ۰ م ۰ 
ریت زگ انے اولاد کے لے صصرف ا ۓ ر کو کارا 
| زکریٔا ِڈنادی ری زب لاتزنی فرذاؤانٹ غیرالورنین ه اجب 
ووھبتا له یحیی واصلخنا له زج انهم كانوًا بُرغون فى الْخَيْرَاتِ وَيَدَ اغا 
ورهباء و کانژا لا حشعین 0 4 . (انیابهه) 


سا نے ہے ے۔۔ ےےل ف ایر پارو 
ور کر کا کرہ کے ينبال نے اپنے رب کو ارا کا سے میرے ب ور وکا یاواد ارت ممت داد 
سب وارٹوں سے بترو اٹآ پ کی یں » بل كم نے ا نکی دع تیو لک ل اور بھم نے ای گی فرز ترعطافر مان 
اورا نکی نما سے ا نکی لى کواولاد کے قاب کر دیا رسب ی كلكا سول میں جل یکر تے ته اورامير 


ونیم تی رت ورب یکی کے ہما رک عباد کر کے ے اور مار سساح لكر لت سے۔ 
با ے یں با ما 
لور رخمت رَيَک عَبْهُ گرا © دی هدفه فال زب ا وَهنَ 
عم نی راشتعل اراس میرم اکن بدا بک زب شَقِياه و نی جفث الموالی 
من ورآء ی وَكَانَتٍ اضراتسی عَاقِرًا فَهَبُ لی من لذنک وا ه ری وَيَرِتُ من ال 
يَعْقُرْبَ وَاجْعَلُهُ رب وَضِيّا 0 44 (سورةمريم 
تاكاه ےآ پ کےر بک مم ريالى کا سے بندہ زج مول نے اپنے ر بکو شير طور ير يكار( ل 
یں )بعر شک یاک اسے میرے پروردگارا کالبو اورس رتل بالو ںکی سفيد ىكب لك اور 
(اس سلس میس ) آپ سے اےمیرے رب با نے شل نا کا مال ہاہوں اور شل اپنے بع را سے رش 
رارو ںکی طرف ان يشر ركنا ہوں او رم ری فى لی با گم ےآ پ ونا ی ا سے پا ی سے الما( با وارث 
د ےدک ےک دہ (می رےعلوم نال يبل ) می راوارث ہے اورمیرے دارا تقوب کے نا ند ا کا وارث 
سے اورا سے می ر ےر ب اكوا ينا يشد يده جنا کے ( ئل تا لی نے دما تجو لك عفر ای )ا ے زک مایت 
فز نك رید ہیں جن کا لها ہھگا۔ 
رت علي رالسلام نے صرف ايخ ربوركارا 
وال رر ان مرم قل رھ 
السُمَآءٍ قال لوا الل إن کم وین ه الوا ند آن کل نها نمی فنا لمأن 
فذضد فتازنگزن عله من هن 0 فال عى ابن مرن اَّم رل ی ادن 
الما کون لَنا عِيْدًا لا رلا وجرا وَاية نک وازرقناوانت یر الرازقین © قال الله إن 
رلا علیکم فَمَنْ یکفر بَ عد منکم قانی اه عدبا لا اعََبه اخذا من الْعَالَمیْنَ0 4 


على خط ۱۳ ناب رر 


(ار۱۵۲۱۳) 


یی وہ ونت تال زكر جل ھوارشین غ کی اکا ےکی" ان مرگ !کی يكاد ب ای اکتا ے 

کم آ مان ےکھاناناز ل فر ےآ پ نے فر ا لک خداے روا ایا ندار ہد وہب ےک ہم چا ے 

ہی ںک ای مس س كها يل اور ماد ولو كو يورا ينان ہو جا اور باقن اور بڑھ جا ےکآ پ 

نے ہم سے بولا ے اورت وای و سے والول شی سے ہو جا بل - 

یی“ من میم نے دعا کی اب اللہ ! اے تماد پروردگار ! م برآ ان ےکھان ناز ل فر ماس ےک دہ 

ب دس اول وآ خرس بك ایک خو یک بات ہو جا هک اورآ پک طرف سے ایک نشان ٢و‏ جاے اورآپ 

کک وعطا فر ما سي اورآپ سب عط ار نے والوں تاه ذل تن تعالی نے ارشمادفر )کش دوکھا نام یر 

از لکرنے والا ہوں پھر جوف تمس سے اس کے بعد نات شناسی اور اش ر یکر ق یس ا کوالسی سا 

دو ں کاک وہ زا جہاں دالوں عل ے كلش دو ںگا۔ 

ای ب کہ ف نے شای در بار صرف ایک نی ربكو زكارا 
اکا با فلز حير برست چندنو جوان جنمول نے سلطنت روما کے ایک ثلا لم اور جا بر بادشاہ 
سا دد ہار یم سے حيدكا ای ک اھر وتا ای اور ایک ايهال رت و اقلا لکا ایا متلا بر ٥کیا‏ ی نے 
د یکن و الو لکوت ران زو کر کے كدي ابول نے باه ےگھرے ور پا ریش کیل اف فرماي كم 
ما دامپ ہے پادشا دگل ے لا رسپ صرف ائدتھا لی ہے۔ جب رب دای سے رلى اوركوم ووم ران 
مات سر مت والوہیت دونوں ایند ن یکیساتھ نيال ہے رآ نم یل انش ان أو جوائو لكا 
لوا طر عفر ای: 
خن نفص علبک بَا شم بلق هم فة اموا برتهم وزدنهم هدی و 

على قیهم ام فا رازب السمراب رَاورض آن تذغوا من دنه اله لد 
اذا شَططا» (سوره کهف) 

ما کات رآ پ کر فیک میا نکر تے ول لاک چندٹوجوان تھے جواپنے رب یمان لا ے ے 

ورتم ابیت بعل اورت کرد یکی اورہم نے ان کے دل ال وت مضبو كردي ج بک وو یب 


کی خطرات ۵ صرف ایک ر بو ركاره 


کر( بادشاه کےسا شت کھڑرے ہو ےک مار ارب دو ے جوا فول اور زمیو لكا رب سك لا ووز 
کرک ود عباد تم كر يل کین اکر ہم ای اکر یتو یقت ہم مکی بے جابا کر نوا ل بول گے_ 
احا ببف نے قا رك تنهال يلك صرف ایک ربكو ركارا 
دای الْفتيَةٌ إلى الْکهّفِ فَقَالرا ربا انا من لد ئک رَحُمَةَ وهي ء امن 
مر نازشداه (کهف) 
وہ وقت قائل ذکر ہے ج بکہان نو جوافوں نے ال قار س جاكر يناه ل اراس ما دب جم 
کواپنے پاک سے رت تکاسامان عطاغ رما سے اورہمارے لے ان لكام یل در یکا امان اکر کے ۔ 
۱ ىہ تے وولو جوا ن جنہوں نے لورى دنيا او ريمروفتت کے ہاوشاہ ہے٦‏ کل بن ہک کے صرف ایک 
ربکواپنے كك كال بك الك تلك ہو گے او ری خطروكاخيا لك کیا ہے د 
کیا ڈر > و عو ساری خدالٌ تھی عالت 
کن سے ار الك فا بر لے > ۱ 
وحیر و ہے > کر غدا تر ہل کہہ دے 
ہے بنده  «‏ سے فا میرے لے سے 
و7 کی اشع ےلم نے صصرف ایک ر باورا 
کر انیم تانق رآ ىك زعم اراو رآ بیس حتت انیا ءكر امكل 
عبات اورا کیل ایک ر بكو يكار نے کے ققحت ہی ںگو یا یسب ٹیک رگم" كقيرات ہیں تو جوگم 
اتی تا ما نما را موا تال یکی طرف سے للا وتوكم یمک رم سی ال موی ملا۔ارشاد عالی ہے: 
( الک لذبن هَدَى الله هدام افتده» رانعام ۹۰) 
نی رات ارام مخ ناش تال بای تو سو پبھی ان هرق - 
ين نیاوی کنات میں تام ان یاکرا مک تقلیمات ای گت یاقآ لیم نے اکر ایک 
یک ارک کر وک یکیا ہوا کی تلم تام انیا كرام اورقنام امتوں سك كال موی ۔ رمال 
ورام رق رآ ن یم نل رب تھا یکی د بو یت عامہ وخا ص ادر رب العا دان ہو ےکی پش یک1 تل ات ی 
ہیں وه سب تضو راک ر مکی ام تک تیم کے لے ہیں ۔ اوران سب کے هط بآ پ خودیھی ہیں اس 


می‌خطبات ۹ صرف ایک ر ب ویار 
کے سا تج سات کئیآیا ت ای بھی ہیں جس میں فا طور رو اک ایو )م س کا ارت 
رب سے رورت ما کیت - چنا مہ ارشاد باری تقال : 
نال رَبَ احم بالق وربا ارم الْمُسْتَعَانُ على مَاتَصِفون). انی ۱۱١‏ 
یکم نے فر مای كرا می ر ےرب !تق کے موافن سل فر ار کت اور( جج تن ےکغار سے ی کباک) 
ہکارارب تم بل ہے جس سے الن پل کے مق لہ ل رد ای ہا ہے جم بناتے موب 
حضو رارم نے بر کک م یش در ایا را 
ربا لات اخذناان نسينا آراخطتازبنا ولا تخمل عَلَيَْا اضر اکماحملته عَلى 
ین من فيلا رن وا من مالا طاق لا به افش عن واغفر لا وازعم نت مر لا 
فاصنا علی الْقَوْم الكْفرِيْنَ 4 مقره۸۱» 
اے جمارے يرود درم گی نف ما سے رم ول يل یا چوک جا كيل »اسه بماد ےرب او رہم 
كول نگم ره کے م ے يد ل رگول پرآپ نے تي :ا ماد ےرب !اورم کول ايسايار 
(د نایا آخرت میں )نذا ليك سک ہم شس طاقت دی تمت د ركذ کے او روک و حك اورم يرتم 
کین آ پکارساز ہی ںآ پ یی لكافرل وول ھا ب فر ماد جج - 
حضو رارم اپ مچ ڑا سے رب سر وروی 
«فل إن صَلَاتَىْ زنشکی وَمَحْياىَ رَمََاتِی له رب العلَينَ 0 لا شریک له 
وبذالک ایرث وَانا ال الْمُسَلِمِيْنَ 4 رسورة الانعام ۱۳,۱۱۳ 
آپ ہر ماد کہ بے نك رک مز رک سا دک عبادت اور هی ریا ورام نار لض ال یکا > 
جورب ہےسمارے جا نو ںکا او ہوا یک کم اس اور سب باس والوال سے پہلا ہوں _ 


حورا رم نے تاراق رن کے مقا بلس رميكوزكارا 
لوَقَالَ لول یز ان قزمی الْحَذُوًا هذالفران مورا رسورة الفرقان * ) 
ددسو لكش كس رس دراوم ا تر آ کل نظ را ند زکررکھا تھا۔ 
انآ ول سك اد هتسار یل امک ہیں ل می پروردگا دعام اودب العاان اوررب عرش انیم 


نات ے٦‏ صرف ایک رب زاره 
یی تتو ں اور کل دا سل ر بکی یل اور او بیت عامہوخاص كاعلانات ب ںی ضور برع نے 
اسف مکی اپ ضرور یا توانر تیال اور رب العا نت ما مگا۔ چنا چارشادے۔ 


حضو اکر نے وا رب سے دای 


#رفل رب آذحلیی مد حل صلق رآخرجنی مُخْرَج صِذقِ راجعل ی من 
دنک سلطا نمیا 4 (بنى اسرینل ۸۰) 
اورآپ لول دعا كيك ےرب !روش کیت بداو رمج كوخ یکی تسه جا وا پا 
سے الما غلب کو لکیس تحونصرت وبردہو۔ 
رسول کرس سی ا علیہ وم ی مق دس می کی بہت سارك اک دعا يل ہیں جورب سے 
ىك ہیں او رس میں صرف ایک ر بکوان دعاوّل اوران پیارول اتکی یا ہے۔اس ے 
اب ب بات ال داع لس تن دعديث اوران کا مک .سيك نض اي شلات نل 
صرف ایک ر بکو يكار ےت ےک لدان کی ہے اوكا چزو لواف تدای اودر ب لیم کے سوا بھی 
ارتا دواو جارك پات یں بک رادو کی تراد يل بطل ار باب نا ست میں + لووقا فو فا يوار 
متا يشل ےت کی ےکیاخو بكبا > 9 
ارس ادا ام ات زب 
این إا نف مسبت ا سور 
رک الات والغزی‌ ی فا 
ولیک یل اس رل ویر 
جب عبادا جم ہو نے لگ با و کیا س ايك دبك اطع تكرول یا ایک با ریا بک اطاعت 
کروں؟ ای لس نے لات ما 8 اور مز کس بکویچوڑد یور رآ وى ایبا كرحا ے۔ 
ایک بت بست کے بت بآ کرلومڑرکی نے پیا بکیابت برسم تکروه‌نظرد رن بست ب کیا 
ادر یرک اکرب ایا کل ہوتا جس پاو یال شا بک یت ے 
ارف ول شبن برایه 


على خطرات ۹۸ نايك بار 
كياش ا كورب يتلل شل کے مر پرلوٹریاں پیا بكرن راق ہیں ؟ یقن دوبڈاؤز ل وال مر 
لومز لول نے پا بکیا- 

ے زندگی الک حلت کے لے پفام موت 

کک دبا ہو جو ماس کی تروں کا طواف 

رما حید کے معا سل لا لصفنت يمآ جانا اہن جوا حم ل ے۔ 
1 الیرالا ان ررسول الثر 

ها كر و شر لا ال الا ال 

ماع الل مم لا ال ار اث 

۳ £ ک0 1 اي عرزي کیا ے‫ سے 

ہیں کی کو خر ل ال ال اش 

زے قيب ہے دوات اکر بے ل عاك 

»د لب پر شام کر لا ال الا اللہ 

وم وش و رگ فریب دب نہ کے 

000 ال اٹ 

سس بھی کر موی عل غرق ہوجاتے 

ته مر سات ار ل الم ال ال 

بر اک ذه ج هرن پر جح کل 

دو رگ ہو کہ ٹر لا الل الا ار 
شتا تام سلمانو اورا را ست پلا سے رال پاتقا ست مطاف سے ۔آ ین يار این 


ی‌خظطیارت ۱۹ تیا كب كرام ؟ 


س00 ۲۱ جول لی ۱۹۹۵ء ينها مع مر لش ر وذ کرای 
موضوح 
عيسال کے کرام ہو ے؟ 


مم شراگن ارم 
قد کفر اين قران همیخ ان مریم وقال الْمَسِيْحُ نی بسرایل 
اعبدُوا الله ری وركم 4 (سورئه مائده ۲ع) 
”بے ش ککاف ہو ے جنہوں ن شدای ہے مریح کا با ات کہا 
ا بق اس انل ین ر یکر واک جومیرا اوزکھا رارب ہے - 
قد کر لذبن فالا بل اٹ تلا َة ماین اله لله واج (سورئہ مائدہ ۳ع) 
کا رو جنہوں ن کہا ال ے تن لكا ايك حالاك كول ستول ر ایک مور 
«مالْمسیَخ ابن مریم الارَسُوُلُ قذخث من قبله الرشل. امه الصَّدِيْقَةُكانا 
یا کلان الطَعَام که (سورثه مانده ۵ع) 
“يل مرج ابا را دكا رسول اس سے يكل بہت رسو لگ ر که ناوراک بال ولیہ سے 
سوج 
کم رات 
رتم ری لم بيدأ سے ے٥‏ سال ييل بیت لحم مقام 
ل پیداہوۓ ےپ کے اسن والو ںکوعیسائی اس لے كت پل کر وہ سكل علیہ السلام کے 
ادا »ان سک یبھی کے ہی لک عل یر السلا م این می مك یکا جا جا ے+ ان رون 
رتارف نصا رک ؤل »بينام الل وجہ سے کل علیہ السلام نارومام عل پور پا یح ء 
ان لوو ںاو رآن ومد یٹ نے الل کاب کے نام سے گی یادکیا > ۔ ال کناب بود ونصارگی 
که جر پچ دورش ان لوگوں کے پآ کارت اور بعد کےزانے ل خدول 
ق رن سے يبه دوس ری اقھام اک مکینبت بیلل کاب« اس مان جاتے 2 
رما رت یکی علیہ السام کے باس والى امت کک لويس ال کیچ ہیں ہے امت اين 


ھی خطبات ۰ سا ےرا ہو ے؟ 
وو رتل برتقن اورراوراست بر وال ام تک - 

برح ےس علیہ السلام نهآ مان پا گے جرب تیا مت کے ونت دوپاره زین 
7 میس کے اورتضور ارم مکی الف علیہ لمکا اتی منک جا ورین کے اوردجا لک لک یی کے ج بآپ 
كانت تقال نے1 سان بر ٹھا لی تق اتی سال بعد پک امت راہ راست سے پھن کک رای میں جا ۳ 
اوران كيذ من فرة بن گے ۔ 


میا تیو ں کرات یکا یب واقعہ 
۱ یی يم ها ےک رف یی سكء ۹سا تک نار دتم ے اوران 
سل اعمال درست امات يزاك ردول سات ا نکی ایک طو یل لی رک 
یہودیوں مہ ایک بہا ورس تی ج کا ناملس تا برض نے ضرت مک علیہ السلام حك تام 
سول اورا کا بکوعصوت کےگھاٹ اتا روا اک دن اک پش نے اپنے ساتيول ےہا اک ایق 
اکرو بدك زا بڑے خسار ےکی بات ہ ےکم 
سار نم یل جا يل اود مار رن تما یکامیاب و جنت ٹیل لے چا ی داس لئ میں ایک 
عل کے زر يت سے یسا کو ںکوگ را کر نا ا ہتا ہوں تا کرو ہگ تماد سسا تجددوذ رخ میس لے یا ں۔ 
چنانیڑ وس هاچ کوک کاٹ و الل او پچ ريس ذالكرنصارك کے با 
اپ نمال دافوال دام تا کیا یسا ال ن ےکا مکون باس می تما ران ڑل 
تول نهآ سان سےآوا کی سك تيرق قو ب قو کل موی ہا لا ریسم توافت راو بر تبول 
ہوجا گی دشا دسا ہو جا ۓگا_ 
ان اٹ کک رل کرو باس دا ادن رات ر کی اسآ ال 
پار امل 56 سال گر چاکے اندرعبارت میں مشغول رامال کے بعر ايل سگرمات 
ا ا اک ال ے! کاب قول 
کیاورز تك اہ سے ا وھا لک سه بعد يال بيت الال چ گیا ارال سلو را ی ایی شوہ 
یا كبا لس اورم" ادر الت بول ود لاد را ان تون تی را ےہررک روم پل 
رواد دوسرے :دا سے لاتا تک جم کا نا یق ب تی ,ول قوب > 
کدی جن وس جس ےکی تھے روہال کے مها کے بعدا نے 1یک اورمشہورعیسال 


کا ل ےرس 

لاتا تک كانم لان تھا کی نے ان ےکی اک در قیقر چرس 7 1 
صورت یل زر مین پرآئۓ ے۔_ 

گرای کے اس منصڈبے کے بعر بال نے ب وول بعد اسن ان نول شروو ںکوا تک الک 
با ريك سے یبا کم مر فا آدی ہو ک ل مس كل خوشفودی مس ا ۓآ بکوذ زع کرو کا 
کیو ںکی نے دا تاک اوو اب م یھ ہے دوب سے رای ہو کے ہیں ابی کی خیشنودبی کے 
تحت مکل اپ ےآ كوذ کرو لگا تم چگ هر فا لول ولا عل نے جوکقید مش ککھایا سے 
مرب بعد لوكو كواى كتير ےکی طرف كوت د كربلاة- جنا د دوسرے دن بلس حون خش 
کر کے اہی آ پکوز كردي اورشن ون کے بعرضطو را اور تقوب اور ہکان نے كو كواسين ےتید ہک 
رف بای اود بر لک وال داتسا ول کے اند رفن فر ے بت ایک سطو ررق جوتین انوم سی اللہ 
اور اوت رل ام ری کا قائل ےدوس رافرقہ لتقو بر جوا رابجا نتسب او رتس فرق کاس جوش 
١‏ کون خداکچتا ہے پچ ریو ںآ بل لخو با ے (کوالض 3اک انںح۲ضص۵٥٢)‏ 

رم این 

آ پکواس بیان سے انداز و موكيا موك كه دد انما غیت سكسل فک رون ہیں کہ جا نکی ترا 
د ےکر دوسرو نکم مس بايا سه کے منص وین تارکرتے یں اسب تو تاک خبیی تس کن کی 
رفآ :اورخو راگ تا کرو خودیجیآگ بل جانے کے سل تیار اورد وس و لوبق 
ٹن رب So‏ سان اورشادی زین ے جواں وق ت کی م عل رل ے »اور ال كام 
عل عسال بھی ان شاد يشان سر مل سے نمل لل طرف وه لوكو وروت دبع ہیں۔ یل نے 
ميا مل سا لکی ر یں جدبك دیکھا اورسنا ده عب س کہ يبود ونضارك انانف ںکوڈاشی »سح 
بدکردارگی »اوراخلاق سوز افعال کی طرف لے جاتے ہیں۔انہوں نک یکوشریف نے ييل بای ات 
ريفو لكر جا نو روں سے پوت مقا مک ماديا اس کے بتكل اسلام می جو یہد يا سای مل 
لور برو مل ہو جا تا ے و كردا رک لك بن اس اورش راط کا نا فرش صفت انان بن جانا ہے جس 
كامشابرودنياكركق ے۔ 

ال وت يبود ونصا رك ا لوٹ میں گے ہو ںک کی رح دو خود دوذ کے ینکن 
یں ملما ن گی ای ط رع دوز رخ کا این جن جا يل 


على خطبات و۳ میا یراہ ہے ؟ 
ا رای سے اوران تا 59 INT‏ بے چا نان ود کے ال زو 
سطوري پرای‌طرر ریا طلَفَدَ کفر الّذِيْنَ الوا ان الله تالت تّلا َة وَمَامِن اله الا 
واحذ4 

کک کا خر ہو سے جنہوں ن ےکہاا تن کیک »الک ایک جود ول مور 
تس لان صرت کن رولقرل»ادراش ماع اورا تو غدائل ‏ (العیا ذباللہ ) 
ان می ںکا ایک حص وار الثرببواء رون تقتول ایک اورايك عن ہیں ء عیسا خی کا عا مكقيره ی 
ے -اورال خلا ف قل وبدا ہت قد گرگ گول مول اورمد ارعپارنوں سے ادا تے ہیں اور جب 
می کے بج می يلآ جا نو ا سکوایک اورا ماخ ل تقیقت تر ارو یج ہیں »5 > را 
ولن ی صلح العطار مساافسده الدهر 
"بل وكام اکر بد ودا نادس دوعطار کےعطرے شور رل موق 
ایک کین او رن ایک کے غلا فق لکقید سس اق ایت ریف شا رس ےکہاے 
یت ال نے تھی الك وها اک 
ون کی سول من يكز ے اور با ایک 

دوس رےفرقہ نو ہے کےکقی رہ ردک نے کے لئے الڈدتھا لی نے اط ر ںا رشا فر ما ہک 

ر قالت النصاری المسیح ابن الله ذالک قولھم بافواههم 4 سور ب٣)‏ 
”او رنصا ر کہا ا ال کا جا یا دہ یں اس مدر سےا سکاف رو لکی با تکی رل کر نے کے 
شی ابیت یاالدبی تج دغر :کا كقيد اذ مشركان کےمقیرے کے مشاہ سے بک ہنی کا 


قير مل با نقیارکیا۔ ( ترا س۲۵۲) 
ہر ےر ے کی لراك اس 


قد کفر لین فان الله لیخ ان مریم یم وَقَالَ لیخ انی اِسْرَائیْل انا له 

بی وَرَبُكُمْ اله من رک الله خر الله علیہ اة واه انار (سورۂ ما نده۳>) 
نک کار ہے وں ے كبا اشرو مركا بنا ا5 جاور کہا اے کا ا انل بندکی کر دای دکی جوسرا 
وتا راب شک :مس سے ریک ایال کا وتا مکی ابش نے الل ب جنت اورا لكا كا تددو رسک 


کات ۶۳ یرای کی ےک راہ ہو ے؟ 
۰ پچ سس يبال سار یناک يفيت کل نس بان 
بک انیت کے اس معا ر پہ لود ات ؟الن کے ایمان پا کال ی ےک کل کےخلاف :فطرت 
سر کےخلاف :اور رترت 72 یر بات کےلا فک نمی ود ابنادي أي من او رین ایک ؛کی 
بھول یاوخ براۓ نام ہے ینا سرا ز وروقوت صرف حفر تک کی الوبیت خا ب تکرنے 
مر فکیاجاتا ہے ء الام خودصخر تج علیہ الام خداکے رب ہونے اوردوسر ےآ دمیو لك ط رح ا سے 
م رلوب ٢و‏ ےکا اعلا ا تر اف فرب ہے ہیں اور شرك می ا نکی امت متلا ہو نے و ای ا سک يرال 
مز دراورشور ے بها نکر ے ہیں بی تھی ان ان لورت یل مول _ ( یر۴ لص١۵٥)‏ 

الوبييت 6 کل ی ٹگئی 
اشچارک وتا نے ایک یب انداز سے ایتک ومر مکو پل تھبرایا سے :جن سکوعالم 
وا كنض يلهال طور راخ سی منت ومڈ و سے رہن یت پنراورمتصف مزان 
خودي فم سکناک کیا او رکہان ہے۔ چنا جراشتارک وتا یکاارشادے- 
هِمَالْمَسِيْحٌ امن مریم سول خلت من قله الل ره صِدَيَُْ ۲ 
الان العام نز کی ی هم الا ب نم انر انی کون 4 (سورئه مائده 
pai”‏ تارف رین بط اور کب رکز ر کے ہیں اورا نکی 


لابا 


22 ۳ پْ ب پی راک ایی جوا نی لی ق ی جس ے الطدتعا یک قدرت 
ترشیت اور مق ہو ےکی دلبل بق الا 
انلس اس تیک قكوالو ہی تپ كل علا مت قر اردے ديا کت ال لح فا ےک وہ !خر باپ 
کے بيدا ہوۓ ہیں۔ اللہ تقال نے ال كاجتواب دي سك برآم کے بارے میلک یاکہوگے وہ 
رال باب کے بدا نت اکر بخ با پکی پیش غداب ےکی دمل ہے فو رآد مگ داکہو 
ارگ دام نو جراخ ر پاپ کے پی ال اگ ری نے بذ بڑےچھزرے دک ھاککرمردو وهی 
> ال سے دہ دا تو سوک" کرت خدامان لوجنہوں نے یک دزی کی ان كوزتده سائب 


ناک دکھایا جوا نکا اوھ راک حر تفع لم کےا رح وا تھا ا 
انس بکونرامائوگےۓ؟؟ 


میات ءا تال ےگراہ ہے 
00 یقرت کیج زی کی مو تک دل ہوا ہے ضہ یک جزہ ا کی الو ہی کی نل ہر 
ہا ےا کی طط کرامت ایک کی ول یت وشرات ارت تس تک ريل بول سے نہ كرام 
كوو یکی الوم بی تکی وجل بنایاجاۓ ربا ل مکوکہاں سے بد چات ش یک الوہیت تے؟ 

ال کے بعد الث تال نحط رس" اورا نکی وال وکر مک تلق ای م یع لرا رادراب 
ل ے عا کوں کے قلط عتتا کہ کے بر ويالا مررح اڑ گے اوران کے غلط خيالا تک عمارت ز یکن بور 
موی اورا نکی چ ڑل کی دفر مایا كا نايا کلان الطعام © 

سن حضر دئ اورا نکی والره دونو كما ناكماب کہ ے خ اب در جوکھا نا کھا جاے وہ 
کھانے تام سا یط فخت ار ہوتا ہے ءوده يبيل لو ےکی طرف متاح ہوتا ہے يج رلوبار ستکاشت 
کےاوزار جنا ےکی رف تارج ہوتاے ,پچ رکاشت کے لتم كل طرف تار ہہوتا سے ب رکاش ت كانتا 
وتات جر اکتا ہوتا سے کہ پودا ا کے پھر رو پک طرف متا ہوتا سے تی لود ےکی 
نٹ وفما کے لۓ ہواجا کار زا دراو تک سک ضرورت بل »رشك ضرورت بل اور 
رکرو ری اسبا بکا میا مون اوقترا تکادورہونا چا ہے ۔ ينل يكن کے لئ دوي اور لق باس 
کے لے جا نداوررنگک بھرنے کے لے ستارو لك ضرورت بل >- ركان كما نے وا لان ل کان 
کا یرف صا فک نے پاعتاع بناج ےکاتاح ب1 گوندن ےکی طرف تاج ی راک پان 
کی طرف تان پھر ات می اق اٹ اکر منہ يل ذال كى ر ف تارج يج نفلا متم ملل اس کے اتلك 
ارات اص ل كر نے اور ہرے ارات ت نے کی طرف متاح قامس کروی ےکر نز یل مد 
میس بین س معد ہک یرک ہوک رفا کے رازفا تکی صورت يل رال ے اور ال 
ایاج لجرك طرف رفخ میمعت 

:7 میں صفراء سوراءر مدا داتس جك رصفرا ركو بيد هرد نا یغزاب 
وجاۓ پوصفراء بدن لکیل کر لا ی یماری موجالى سب ہہ بمرايك ایک تعر صفام مد 
مک سک ہوجاے سود بل رپ در 
راتا ے رخو نکو ين كرول تك ھا جا سے اوردل يل بكبيّك كادفاى نظام اس خو نكوركان 
اورشر بإ فول شل ذا لكر بدن یس میسن مںپ کر یخن دودع بان جا جا »قد رت یی 
ولعب ظام ے۔ 


على خطبات ۵ےا میا یک ےک راو ے؟ 
رمال انان مکی طرف تا اور رکا كافضل جداکر نے کے لے قضاۓ عاجت 
ا يشابك طرف مالسل کےساتھاعقیاع درا تیار ے یضرا کب مان ان ے؟ 
وک انایاکلان الطعام دوروو ںکھا کی-2 تھے سبسحان اللہ تاذ ای مایت 
ككينا دز کیے ہو طور تا تكرديا- اک نلا مکی طرف باب سعرک نے ا راشای 
اړو پارو و خورشر و فلك ور كار اد 
انا بف آرى و نفلت وری 

نأ ےکھانے کے نظام شش بال مواء يا ند سور اور مان ےکا مكيا سل اجب 
لقلا ہاتھ میں ركمو ففلت کے سا تج کھا کے 

عل شرا رشان رد الترعلي ظا کانایا کلان امام لار قیفر با ہیں۔ 

”فو رکرے سے معلوم وکا هجوت کیا سے ب كط رف تارج ومر یاون کی برچ 
کان ےشن »پا ہواسورع ‏ میوانات بھی کہ مے اوركعاد سس ى اے استنغنا رل تابن 
کے پیٹ ملک ارم ہو ےتک خيا لكر وبا لوط یا بلاواسط 7 4 و ںکیضرورت > رکا سے 
جواثرات وتا پیراہوں کے ا نکاس سکیا یک ہا ے حارج واقتقار کے اس طويل الز بل سس 
کو وط رت بو تم الور ہی تع وم رم کے ابطا یکرت است لال يول جیا نکر کے ہی للج ومريم اکل 
وشرب سے مشق نت جومشاہدہ اود اتر ے نابت سے ء او جوائل وشرب ےکی نہہودود ایی چز 
تفس رک پر یکہوک جر اقا ماو لک طرر توش عام اباب سے شض ود 
دار کک ے ۔ راس تو ی اوروا سح وسل سے جے عام وجائ ل کال شور هس پل یکھانا پیا 
الامیت ےمان 1 چنکھا اوہ کا د لكل درتمار ےاځ انها ع" معاز ابر" 

( یرال ۱۵۹) 
کم حاض رين ! 

9 مع دلی كديا د رکو اوراسيخ لے وانے سا ول پراخترائ لواو رجارعاش اٹداز 
انا كترى م جا وکوک سلا کے يلول دا مت لاه 
کل نظام اور خالی رانک ناد كوبلا دينايا ست اود انلقن کی طرف دا کی روك عل 
انام ۓ۔ 


على خطبات ٦ےا‏ ال ےراہ ہو ےم 
وایت: مقول سے قا مت کے روز جب ال تھی نضر تی سے لیس عیسسیٰ ااززن 
قلت للناس اتخذونی وامى الْهَيْنِ من دون اللہ ۱۳ 
کیام نے لوگون سيا اک اش موه اورمی رکی وود ہنا 2ء رتك يرال قل ے 
رنب دییت ےفت ہیں طارق »ایک برد سے چ مک شواک اورشم 
کے جوڑ شورع ہو جا میں کے اور يدان کے ربا کے یئ سے اوج خوف غراونری مون کل 2 
»جا ةكا- اور رآ ب جواب دیلک سب ان ک۴ ولا! فو مرق وكيب سے يالك ہے می ےکی 
اا كبا- (روں‌العا ٰیٰ رج “اص ) 

افو ود یت :کیت کے شرکیات دبد عات تفت فا سے لان 


وصلی الله على نبیه الكريم 


على خطبات ےےا وا رت ۱ک کی اشم وم 


ج ے۲۹ عفر لحظ ۱۳۱۷ ده ۸ لئ ۱۹۹۵ء م ین جائ سهد ما رو ةكاين 


موضوع 
ولادتا 11 ما وم 
مار ارم 
لإوَلَلدْجِرَةٌحَيْرُ لک من الأزلى» 
رای زنك )بتر ےکک و یی سے 
تر رات 
سور ھی اول س ےآ بك رسول ارف اللہ علیہ وم مکی زنل اورحيات طيب تی سے 
اورخا ضكري جمل فر لاخر و خی لُک 7 ۳1 لی نآ پک نك کا ہردوسرام رعلہزن گی سك 
لم عل تلاوت ہوک سكأ له رق یذ و ولادت ے کرجا اورجوال 
سے سل كروفات اوروات سے نےکرتاحیات أبدى آي كا بل تاب ناک موك اور پکی زنک 
رز ی ایک ہل نقلاب ی تل ہوی۔ 
علا چات رت رل فر ست ہیں نآ پک مل عالت يبل عالت ابل ارح 
و ہے وگ کی ہے جنر روزه راو ٹآپ سكول وانحطا طکا سب بل بل ارش ع روخ وارتقاء 
كاذ ده > »او رای سے یی مال كاتصوركيا جا نآ خر تک شان وٹ وک تكاج ہآ مکی 
سارك اولا رپ کے جنڑ ے تہج موك ودرا لك بر اورفضيلت يبال کے اع زاز واکرام سے 
شا رور چ ينعار ے۔ ( فی عا ن ٥۹ے‏ ) 
حر آرم لاسام کے جت سح زین پرات نے کے جه ناريك سوت رال بعد رسول رل 
یرو مکی ولا وت پاسعاد یک کر م میں مول خر د علي السلام کے بعد ۲۹ اکرو ےو ,اور 
کے روز آپ پیړا مو ے »راز قال کی ےکآ پ رن الاو لکد پیداہواۓ ا بارہ رگ الاو ل کی 
روات اہ جمشبور يان و زور الب وفات باه رک الاو لت 
آ رپس اش علیہ ول مکی ولادت اسعادت ے پل دنا ۳ الم کے انان مب ود 
اوراغلا قات وانًا یت هواس ابا می سک ر کے تے انسامیت كن ل ے انا مل 
طور يرتاه ہو چکاتھا يبود لوك تو راچ اورعیساتیو ںکی ابل لض ہگ ی میں عیسائیوں کے چنر 


على خطبات ۳ 1L۸‏ ای اي 


راہب رال اور رون میس چا ھی کے ۔ اور يبود لال سك أحبارططاء عام سے نايد ہو گے ے 
راف عامس نيك ادرائ راب رال یب تن یدنه طرف ال 
لے یہاں يناه كز بنج هك بیش رن یآ فا مان نتجمرت كاه اک‌غرش سلما فاد یی 
یمور تشریف لاس تھ ( جو بعد می تضوراکر صلی ال علیہ وسلم کے سای بے ) -آ کر تن 
سوسا لک ریب ری ہے پیل ےآ ]آل يرست سا کوچھو زک رآ پ سذ مود ی تکواخقیا رکیا راب 
نے ودی تک یھو کر حیساحی تکواپتا لاء ج بآ پکا آخرى مرشدمرنے لگا فذ اس نے سلمائن فارک سک 
اب رو سے هن يطاعت باق کیل ے ا ب تم شرب ماک ب ىآ راز ہا نکاما رک ہآ پ روان مو 
رات س ٹہ موں ےآ پکوغلام بتاک مد ین کے ای گآ دی 2 مرف وخ تردیا» ج ب حضو رام 
أ هر تك شیف لا -2 سلماان فا ری شی اد تی عنہ نے اسلا مب لكرليا اورتضوراگرم 
سل اض عير مکی ضرمت اورد تن اسلا مکی اشا عت کے لئ ا ےآ پکووق فکرلیا۔ 
یک عد یٹ مل ہےکاللدتالی نے جب انسافو دیاز رب اورم سب ببرنا راض بو 
سا چندحسسائی راہیوں ےکوی کے عام انال يل رشدوہدای تك روک رہ یی کہ فارا نکی 
چویوں سے پرا تک م روق يتك ای مل نے مام جن دا كور نکردیا۔ حضو ر گرم ال علیہ 
و مک ذات بابرا تھی جر کرم مس وجو تلآ مل دن آپ پیداہوۓ اک رات شاو فار 
وشروان نے خواب دیکھاکہ جندعر لكو سے چپنداونڈ 9 
دش پیلک سج اک تت وشيردان سكب مل برست الاوك کے چو تر ےک پڑے۔ 
کا یرآ یکرائل فارس کے بڑ ےآ كروك و وگ جوا ایک بزادسال بل ری ی احا یمر 
پک کم كك دولوک پت لکرتے تھے ای وت عاك ایا فک شب درب سے اوہ نک 
موكيا سے اس کے سا بی حا ا کرک طرف ے براطلارع 7 11 اک رات در یا ےط رب روا ال 


لوپ ری اور ال سس 
ضور اکر مکی اعا مکی ولاد تک ا اقا شا نک طرف ملس بر نے اس را 
اشار ليا سه ى 
زات ایسوان کشسری ره و ند ام 


کنل آضسخاب كشرى يريم 
كس ككل اس رک يكس موكيا رن تیه 


کات ار 4 واا وت ال ای وم 
۱ سس ارام سن ةالإنفاس من اسف 
یه والسته رت اهی الْعین من تم 
فاگ اون وان ری اس کل اورپ ای سےا لین سوک 
وَسَاآءَسَاوَةٌ ان غعاضن بحَيُرَنَهَا 
ور زارد بالفيظ ظط حينٌ سم 
او انی خنگ ہونے نے سا وی نکردیااور ات نت رس ے ادت کے 
یوم متسر یهافر امم 
ال نزب لول شوي زالبفے 
ال دن فا ری والوں نے جا ليا کرو هک اورعذ اب ےڈ رائۓ گے - 
سيد در پے ارول نے وشی روا نکودہشت میں ڈال ديا اورال نے اپنے بڑے قاس یکو باكر 
اسے تا مصورت مال سے اه رال نے يك جواب دی یبال ول »کلب کے سب 
سے يا راهب اورلاٹ پادرکی 7 2 يالل بعالت اسوفت اد گے جل وو موت وز ليست 11 
کاش مس بت تب رھی اس نے ہم تک کے سب احوا لن لج او رركن گے ! 
كار رات عرب می اش تاک پا راز ینان بنده یآ ال مان پیړامواے ج بتک چودہ 
بادشادفارل کت بجنت تنل ہو کے ال للدت فا ر طرف ضوب بو ےکی لكان 
اس کے بعدايى كايا لمث جا )لكوي بامل هآ يرست پاد بھی ایض باتو ندمو کرش 
فال يشان نبرک چود کیو ںکاع رص لہا ص ہے بر وق تگز رت کی 
سے دبكت ى د یھت فار کی کاو میں ہے بعد در للق ر یں اورآخ می امي لمن رفا روق ری 
اد کر لاش می سر اوقت رش اعد باکر سک تراش عل جم کی 
از پڑھائی جن الب ہوااوراد بام رستو کاب کل مک کم اور نج تک بلق م کل دنا نش 
ےط تکس رک اورسلطنت قيصركانا مم فگیا۔ کل یا 
مبِْتعدماخبر لارام کامَِهُمْ 
بان دهم لهج لے نم 
جب رامع وان سنك جنول ول ها اکاب‌ا نک ھاش بل بلك 


میات ۸۰ متا لاير 
ہک کے چرس تك وس ہواکہ می امیر ے ہوں خت زین پآ شنز وال 
كنول سےکنارے يفك فيض سح آل قي نی كنار ير لھا ایک دفرخواب شل کے کی 
کے وا ل كبا كا ےآ نہ ميارك ہو ىآ خرالز مان الا کے وجو سحودگو شا مول مو بوتت 
ولاو تآ مان کےستارے کے ہآ ے تے لحك اند قاری پیٹ يزيل گے۔ 

جب سی ال علیہ یلم پرا مو ےآ هبدن ایک نورجداہو تے نظ رآیا سل نے تام 
گھرکورش نکیااور دوفو رآسا نکی طرف چ ما شرق وخرب کے درمیا نی کیا جس سے می نے 
شام وص ری کلام تکوردشن وکےلیاء یانش کے ونت خوش وک اہریں اکر ر یں _ 

پ هرک کی زک او رخو یکو پکی ولادت نے ظا کر دی بیان اشر اول وا کیا ی کی زگ ہے 
۱ آ پکونبوت سے یل راوردرخت اک طز نا سلامکرتے تے ”السام علیک یارسُول 

لہ“ آپ فرفري كر اب گی ان بتمرو لکوجا ضا ہوں جد كنوت سے سا مک اکر ے - 

بیس بآ پکاولاد تك انقلا ى شا نگ مت :ضا عت ع آپ کےوجوزسودےعلب سعد یکر 
عل جو اتآ یں وو یآ پک دشان ايل ال _ 

شس نے چنداشمارے کے ہیں واقعات »بت ز یادہ ہیں یل س بكو کر كبن ہو ںکمتضور 
اکم ست رکائل بت چا سنج موف حضور اکر سل الد علیہ وی مکی سیرت ڈو اورک سیا ہے سے حبت 
ان چا ست ہو سحا برام ارت پڑھوخائ كرنزوات کے وا قیات باہو 

فور ارم سن ككل سا لک عم شاد شا مکی طر فآپ نے بز تھارت دور 
کے تھ ایک ف رم٠‏ آ پکوراتے سے داب كرد كياء خد کرک سے شاوی بع رآ پکی الى عالت 
مطبوط موی اورعپارت کے لے يدومو گے كب نے پالیت کک م هریس از جوال 
لأسب نے تکام شی حصاليا اد ب۸ ےک م سامت بکیاء چنا جردو تصلق كرجا مول - 
تا .لطس ےگوہ یش تناس ع لآب دودح لے ےا اب کے س ات ھآپ 
کار ضا گی ما درطي كاب ل دودح تا تھا حطرت عل سعدیہ نے فا کی نے اورپ > 


على خطبات ۸۱ ولا دت الڑی صلی اش علی لم 
رضاى بای را بھائی یس مامتا کی بھی بجول اش او رتضو راک رمیات علیہ اواس 
مال ل ات ایک واب کے رضاگی بماد کا حص تھا آپ مد بن رک ے ل اوررود کل يت ے 
كوي اکا سے ال ےک کاخیال ر کے - 
6ار رت الیرم خورفر ایا کے حك جدالى شل جا می تک کی باتلا 
کی ل کو رک ی خا ل سآ عرف در ی ار ا 
کہ اکم می ری کر یو ںکاخیال رود کرم اک تت ےکہانیا ںک نکرآ جا مول ء چنا نچ مک س داشل 
ایک شاوی کی غل ی ہکا كل آوازآ ری ی عل یی تاک نین کی اورغدا نے می ر ےکانوں 
ب رلك دک د ورک شب ایا نی مواق چ 
مُحَمَدسَبَدَلكوقِنِرَافْفَين 
وال رفن من عسرّب ون جم 
دوف ول ججبا فول اور جنات اورا نا فول اورعرب ونم کے ردار نيل 
حضو ر اکرم مکی الیرم ےکر یاں جرال ہیں بک تام اما ءکرام ن کیال رال ہیں »کوک 
کیال ا نے سے انسافو ںکی تر بی تکا تر ہو رب الب 
اور وت وک لے مرو لک عادت پٹ جال ہے۔ 
7 ۱ 

آ پ ہی ال علیہ و مکی دفات قينا ار الا د لکو ہے ای وجہ سے اس مین کنا گام شش ار 
دفا تک ہین ے ۔اگرولاادت پا سعادمت باره رپ الا و کو مان لیا جا فو يرال ایک تار لل وفات 
اورولا دت کے ہو نے یس اس طرف اشاره ‏ ےکہ تہ اس د نکوید من نی ں کوک ولاو تک و کے 
اه وف کان بھی لگا ہواہے -اور تال دن ماخ م كياج ةكولم سات خيش ىكل بول ےلواں 
رع اعترالقائم بموجا ۓگا۔ 

عم ال مرت خطرت تیان وی رمد ایت علیہ نے ا کاب ميلا رال ل انياء یکا > :رمال 
شی اس لود سس بیان سے للم لک کہ ہمارے بهار کرک زوگ انقلا لى شان رکتاے 
ورپ لاس کی ایی انقلا ل امت اش تھالی س ب کی لک وق عطافرمائۓ ادن - 


على خطبات IAF‏ لات كال عي مم 


رآ وصریث 
عن ال زتاض بن سَاَِة ضاجب سول ال صلی الله له سل اه ال 


سمه تبث سول الو صلی لله همقل ی عبدالله وحم ال 8 ین وان آَم 
لمنجدل فيط وسا کم عَنْ ذالک وه ای راهيم از يلي 
بیَرامی لین رأ ودا لک مها انين يرين وان ام رَسُولِ الله صَلَى الله 


عَلَيه وَسَلَم رات جين صمت نا اضائت له قسُوْرَالشام, 
عَنْ ابی اة لاقل سل له ماکان بء اثرک؟ قال د دَعُوَةٌ ار بی ابراهیم 


دو > و ور 


وَُشْرى عِيْسَى بْن ری رات میاه حرج منهانوزا اضاء ت منة فصو الشام. 
( ورای الخو ترج ص۸۳) 


على خطبات AF‏ غار راء ل عل ورت 
رگ الاول ۱۳۱۱ ۷۷ ۲ اکت ۵ء ھ یپا سچر ملس رو كرابي 
موضوع 
عا ی7اء مدل عل بوت 
دار ارم 
«فراباشم ریک الّذِىْ علق غق لانسان من علق را وربک الاگرمه 
لی عم الم عَلم اسان مالم یلم 4 
و رکون و مکان زیر زین و زان 
ایم لر جرال شر زار 
جال کے سار کالات ایک مش سے 
ترا كال کی میں ہیں کر دوهار 
رم عاض بين ! 
لثمتال یک عادت مہا ہکس ےکک ن یکو جب نوت عط ا كرتا جلا تت سا یھ رو جانے کے 
دع كرتا کوک لیس سار شآ و یک ینف کالہ مل اورپ وما سے اقوال وال 
قراریکون مامت ويرك اہرآ ہا جاے ‏ اع ال اور برداشت پا وتا سب اورش راک ے 
متا لے میں تیآ وال سے اس لے ا ایک دوانیا کرام لاد تال نے سب انیا ما نس سال 
لود ہوجانے نوت عطاف رسال ہے دوسرک بات یہک نوت ایک وی ججز سج كلق عطاے البى 
سے سے یلا کی جزل می وج کرو کی نی نبوت لے سے يبل بر یکا امی درل مدنا سے 
اور ی کب بل كلك سے بذ کر نی نس يلل ہنی براه راست اتال یکا شاگرد ہوا ے :نود 
حضو کرم سی اي متا شروش رک سے وافلف ت ےکا تک الیل تھی نے بوت 
عطاك بياس مج كول اعترائش نك ےکرلو جناب ال نے پٹ ولک ےک رخبوت حاص کی ءاشع روشاع ری 
لش یکر کے نبور یکا وکو یکر ٹیش + مرک بات ہے کان تیال نے + سکونہوت ے ےن کیا ہے وه 
رید رمال تکی ادا راتسا اب یچ بھی يال ہو اخ نی نے فربیض یش 
2001101 
720 !شتک رون جلال اور رمت الى و رک وق تقر یبآ کون یکر 


عل خطرات ۸۳ غا راء لل صل بوت 
کی ري لس سا لکی بل رک مان ہکی کاب نے ول یی اور یم قلاات كا دو شرو ہونے وال 
۲ كرك جار کی کافورہونے وا تھی لہ الا کا لفل پر پا مو توالا ته ابق انیا ءكدا 7۳ 
صادقی ہونے وا یں )اہب تفر کے زی ہش مود لامعا تكيش صوفیاء راہب ئن اقا 
اوراقوام عم کے باد کف روشک الم وتم ولو خر ولو کی غلاى سےآزااکر نے کے لئے الم 
یق ر کے خط رک ا اک سیدنا سل اللہ علیہ ول مکی قلت سیک زضان اور کات ظاہرہوے 
روح وس 
سب سے پل یآ پکوصا اور ہے خواب داد گے ریا صاو دک صاد قرت 
ری کی ہک تق یبآ فا ب نو تلور ہونے دالا کی رو یکی ط رح سے خوابو لک یرد بر 
ری یبا کک یآ اب وت فارا نکی چوٹیوں سح جلو كر مواءاورال کے رو لیات اورتیزکرفول نے 
مشق مغرب اورجنوب سے شا لک عا مکورؤش کر ویر صر لی )لبجب تقیقت پتر ان ول نے 
دوڑدوکرااس رد یکو نے ے ایا ادراب وکل کے ہٹ دع رم انسافوں نے انی رمال > ے اس رو 
هل ٹھاا اراس گے۔ 
أب س ارم وم مب عاد ترم جتركلوميز کے ذا صل يعار ا ی وروگ را ور 
کی عبادت وریا ضت طرق تيك ۵2۶ ۸ا رمضا نكا بادك ہی تیک ایل تیا كارن رک فرش حطر ت 
جر ورت انان سا یرکسع کی بول سور عل کی برای بای آ یس ابترال وى 
کےطور لكل ادر كيملل سے کر معا قورع 
آپنے نے چوک سی فردیشر سے بلك پڑھ انیس تھاء اس لے پ نے جواب را اک شی ھا وا 
کی ہوں: رت جربل ان سنآ پل لطي ديار سے سے یر 
آپن ه رو جواب دياك می هنيل مان رک مرت خرت ريل ےآ پکوقوب دبا 
اور یر اا ڑھ ع رت جل نے عورم علق ى ابترال عل يذه ال 30 > بھی باه 
لی ءا نآ تو لكت جم رے! 
سے )اپ پردددگارکانام لک ی یا يس نے انسا نکوخو نکی پگ 
سے با ادا داب بدا ہے شل سخ قم کے ذر يع سے ملم مایا ورانا نکووه پا تی 
ھا میں جس کا نكم دقها- 2 (سورمعان ) 


بات ے۸ غارتراء ملع بوت 

پا اقلا اقرا ے مالم لم تک رآ نکی س بآ ول اورسورقال سے اتیب »اپ 
ار ال خدائے داع کی عبادتكر رسج ےک اھ تک صرت وکل وی نےکر ے اورا بکوکہااف را 
پا ےآ پک ی الم نےفراا نس انس قاری“ لاب جر ےکی ارآ پا 
زورز ور ے دبای اور یارب وی لفظ اٹ را کبااورآپ وی 'مَانَبقار ی“ جواب د سے لس ہتسر مرح 
جرب نے زور ےد اک ہا اقرا باسم ربك “ايرب کے نا ميركت اوریدد سے باع , 
مطلب ہے كر ل رب نے ولادت سے ال وق تک لكآ پک ایک تیب اور رای شان سح میت 
فلج پد درت ےکآ پل یڈ اک میا جانے والا ے۔ (تضيرعنا لم ص9 ) 

یرال امت سكسا تر ب تھا كيبلا كلام ےج ”ا قرأ“ ےش رو ہوتا سجس بذ ول 
سے معلوم مارا ام تک شان بای وای اص تک سے اورا نكويذ هنا كر رن وح یٹ اورد ينا 
پڑھناے دگردو سس رافات- 

ال رسول اذل الوم پر و یکی یت مادک مركن :ل سے پور سم یک طاری 
رگ اور اڈ ےکا بغار ڑآ یا اورآپ انيم الان دول کو تار ا سے اپ ےگ مها - 

ار كر جا سے نوم وم آے 
اور تک تور کم ماتھ لاے 

حتت فد لك رت ک رتضو رار ےر ایا زملونی زملونی یل اوژ مار و_حضور 
اکم نے سو کاک و یک سلسلا ىطررع ری دپ اورف رشت رف اک ط رع دبا پان اس سے میرک 
ان كل جا ءال ےآ پ نے هت فد بی سے اک او ای مان کے جل جا کا خوف 
لاقن وکیا حخرت فد بے أ اک روا رخا ویک حیثیت سے اط رب جواب دياء ہیں ! 
فا کم نت7 پگ روا وکر گا کوک پ سل رل اوررشت دار یکا پاش وماظ ركت ہیں » 
ددرو کاب ے اکا ست ہیں تاجوں کےکام7 2-1 مہمافو ںکی فیافت اورخاط روید ارا تکرتے 
ذل راو قکنکیفوں ار تون میں بددکرتے ہیں الک بعد طرت خد يه حضوراكرم " وان 
ا اد بحا ورقہ بن ول کے باس ےکی تک ایک ما 7 کا ررسیدو :تارج ان سے اس ارگ 
ران کرو ات لکرادے, چنا رم از ای مل نے اپناسماراقص ورقہ ب ننوث لکوستادیا۔ 


على خطبات A1‏ عا راء سل عل وی 
لبون سے الى طرح بخ مودت کے ماج دای > واققات سل پآ و ارہ 
نے جب حضو راک رم صلی ال علیہ وک کا ناتو فر ما نے کے دی ٹا موی سے جوک یآ ا تاد 
ےا ذا تک نل کے قط مل مرک جان ‏ ےآ پ اس امت کے بی ل أيك ما نہ ےگا ہآ پکی 
يسک اورایذ دیک رآ رک سے کا لك کم ری ذندگی نے وف شآ پک یبر پر 
رکرو گا ضور كم ےجب سے پا چھاکہکیامی ری قو م كه فا دك ؟ درق ن کہ اک بال نال ےکی 
کیہ نظام پا مآ پ لا سے بل رب پا مايا توم نے ال سے ون رگا ہے۔ 
ین سا لک تفہ دکوت 

آ پل اٹہ علی وم نے ارام ل وگو کوک رک رود اورف رورت لش سب سے 
يل رت غديئذة الام قبو ل كرليا 56 سے قي مت کک تما عورتق ںکو يم لک رت دي 
معاطات اورییدل بل مردوں سے ب تال ہے۔ بلک ابتداء اعلام تو اسلا مكل آبيارى ورقال کے 
زورات اوردت رت بانیوں سول ءا كل ورنو لكاخيا ل صرف بد گیا ےک کک وهل زيب وزعت 
اور ہنا 2 سار کے لئ يبدا وسيل ذل ورد بن بر جلناياا ںکواپنانا یا الک جفا ظ تک نال صرف عردو لا 
كام سج كورلا کیک مک کس _ 

رمال اس ابتقرائی وگوت میس اش راف ر مل يبل سے حطرت الوب نشی الذرع ماران ہوۓ؛ 
نا ول لز یل بن حارش اورحطرت يلال یھی ار سلبان ہو »او ريجول ملع سر اللہ 
عن ل مال کی عم اسلام لسع تن سا کک ای ررح خی دلوت لق ر یک ا اتک ےآیت 
اک رآ نر یرتک سین تلا پناقر یب تر رشتردارو ںکوع ابا ے 
ذا میں او ركه حيدكا سس جما ہیں۔ ‏ (مورة تجرات ) 

أب ملاع وم خط رسكا سك ذ داهم ے ماما ن ضیافت مہ اكراكرسرواران ثر يل 
وتر ای لل می لآب کےا ری رشت داریا ال »ال ابوب ابوطالب »وفیرو يا لیس افراد سه 
شر کی ہآ پ سی ال علیہ لمکا ارادد اک ہکھوانے کے بعد ان رشت وارول کےسا منت حيركا ستل 
و لکردوںگا ہکن جب ان ول هکم کال ایب ن کبک باوج کاس اد وکیا ے 
کہ ایک آدٹ لگنا سآ دمیوں نے سی ہوک رکھالیا۔ 


ار 9 اما ملع وت 
حوس ای علی لم نے یی بترو ی فر ما یک ابواہب نے س بکوا واي اور ے 
رل کی دل ى میں ری بات نہ ہونے ال 
جندرؤل ے بع رآ پس اش علیہ لم نے دوبارہ ایک وگوت كاامتما مکیا اورا ين ر شح 
دارو یمر بلا یا ال سی ونی لو کیا اکھا ےآ ۓ اور جب سی مو گے نو ٦‏ بل می وم نے 
لل شلوا ی رخ شور کید 
اے بی کہ رامطلب !اد کے اس و ملک ںا بتک گم ترد ناورد ان اسلام سے 
بہت رآ تین سکول انا ن ںیا نارس پاس ال کاو وف ما نک رآ یا ہوں جرت ہا ری د بی ضر ور یات 
رماو > اورشہارکی آرت کے كال )تھے او رکنم ےک میں اب وو سب بترطر_لق م 
کال اب د بای کے نبل سح لون اس سعاد کوس اس لکرتا ہے اورمی راکہناما نكرالتدكا پیا را 
اوررسو لكام دكار بنا ے؟؟۔ 
شيعت کے ری سید ے اوروا مات ای تے جو ہرانصاف لبترطيعيت برا كرف واه 
ےلین از لی بد نت ااواہب نے تہ لك ست ہو كبا ل لوابوطالبتمهارا تا کے بے بے سے 
زاره یاس ےآ رح ی لک ےک میرک 12 ع كرو اورم ے تا إعدارن جا ٤اک‏ رسب ال 
اڑانا شورع كرديا حضو رہکر م صلی الشعلير وم کے ہیں اورا طرف سے نا ران اورھتھوں 
تقب کے جار سے ہیں »يك دي کے بعددہ لوگ الوطالب يرآواذ يل كت ہے جل گے اوراپیۓے 
کفروشرک اور بت يرق ب ے رہ ےکی ایگ ددم ضوبق یکرت ر ے۔ 
قرأ نک #ذ ال لور مورت مال کور کی بترا ی آيتول میں ار با نکیا ے رابا 
«رعجبرآآن جاء هم رُم وقال الكافِرُوْنَ هدَاسَاِرْكَذَابْوأجَعَلَ ألا 
هة الهاواحذاه ان هذالشیی عجَابٌ مرانطلق الْمَلامنهم آن امُشوا واضرواعلی 
هیک إن هن نی يرما مغ بھی ال اجره إن یدنه 4 
(سورئه ص آیت نمبر "تاك) 
"اور کفارقر يش )اس بات پچ بك سف کمن کے پال ال يل سے ايك ڈدسنانے والاآياءاور 
م رین ے( کہ )داد كيال نے ات لکی بنرك کے بد ايك یکی بد یکردی ء بے کیک 
بی ڑکا ب گی بات ے اوران ما رار ل کے ٢و‏ ے چو اور ان "لپت رو ےکک 


على خطبات ۸۸ تار اء ل صل ورس 
اس بات تلو ق ۶م نے ا لکد ين س ربل ناویل( ال )ب نال ہوکی بات سب 

- 

للق اور می !ا ےغار اونا و لکادرپار کر کے صرف ایک خدار بے ديا ؟ اس سے بژ 
كتج بك یا کیا ہوگی اس باس جہا لک تام الیل ایک خداکے سپ روکردیاجاے او لف شجون 
او راون کے جن راو لک بت دک ق رفول سے پیک یھی دوس ب يقل موقو یکروک جا هی مار ے 
یاپ داد ےت سے جا ل اور بے ولوف ست جوا دلوت کول کے سا نس رودي تك ےر ے! 

ردابیت شل سي كاابوطا لبك یه ری شی سرداران ریش نے ابوطالب ےک رحو ررکم 1 
شکای تک یکہ ىہ ار سے جودو لكو مرا بعلا كت ہیں او رتسل رع رح تم بتاست ہی ںآپ ان 
گرا -(ابدطالب نهآ خض ررح باتكل ) 

آ پ نے فر ايا كداسه ,هلان سے مرف ای کم اتا ہول نس کے بعتا مرب ان کے 
می ہو جا نيل کے اورم ا نکی خدمت میں یی کر ےکی کے دہ خوش بوكر بو ےک جلا سے وہ 
کم ہکیاہے؟ آ پا ایک کک کے ہیں مآپ کے دس کے مان کے لئے تيار ل مایا ز یاد کیل لس الك 
ادرف ایی کے "لاله الا الله “ىہ عل توهش می سک کے ہے او رکنے کک ےکیاا ے 
ضرا ںکو پٹ اک راکیلا ایل را؟ 

پلوری! ہے اہج وب سے باز د 1 بل لأمار# ان مجورول سك بے از 
وار ڑے کے یں يم بھی مطوق سے اپے مجورو لكل عبادت وتایت پر ے رمو _مباداان 
کدی کی ضيف الق دارم پان ]بال طریقہ سے بنا د لكامياب نہ و جا ا نکی 
اف کرش ناب لت يد تال ھا ےکیاضرورت سے ۔(تمی ری ص۶٠‏ 

چوک یکر سک ال علیہ یلم نے ناد طود ایک نفام ان لوك کے سا نے ركها دان کک 
اٹل عقا س كران تھااس سك جاگ پاچ منٹ پیل ضور اکر مو اع ااا ت ادا 
الصفات صادق الا ین مها منٹ بعد ایک دم پر قث پ پا ری ورصادق سے بات 
كاذ بکہااوراین کے اس سا جادولركهااو ري چلاتے اپ حرو ووا یں عل گے ۔ 

مکش جک نکش بل کے اتوگراور ا ے 


ی خطبات ۱ ۸۹ تا راء ل عل" وت 
تزه کار رباے ازل سے اموز 
ان مطفوى سے شار اوی 
اش تھا م سبك تفاشت فرب ك_آمين يارب العلمین 
اعادِث 
وَعَسنْ عانشة زضی الله نها أن ارك بن جشام سل سول الله صلّی الله 
له سم قفا او الا کیت یک لوحي ققال رل له صلی الله َل 
سل خن یی بل لضلةلجرس وهواشدهعلی قیمع رقدوعیت عله 
ال راخیان تنل لی الْمَلَكُ رجْلاقیکلمیی فاعی مَايقُولُ. (بخارى جاص ") 
۲ نها نها قلت ول ی به سول اه صلی له یه سم ین اي 
لصاح فى النؤْم فکان لایری روا الاجا ث بثل قلي سبح تب اب 
الْخَلَاء وَكَانَ يَحُلُوا بغارجراء قح فيه وَهُوَالَعبْدالليَالی ذَوَاتِ اعد قبل آن يزع 
الی هله وَيََرَوَُ الک نم برجم إلى حَدِیْجَة فيرو لملهاعتی جاء 4 ال وه فی 


غارجرآء. (بخاری ج | ص ۲) 


© 8 © © سس 8 8 8 رر 


على خطرات ۹۰ کووصفاءپرنبوتکااعلان 


جوا رگ الا ول ٥‏ ۱۳۱١ا‏ رات ۵ء هين جا د راد دو ارال 
موضوع 
کووصناءب نو تک اعلان 
مرک ارم 


فاد ع بماتزمر واغرط عن الْمُشْرِكيْنَ 4 (سورة حجر آيت نمبر )٩۳‏ 
بی چوک کوت راک طرف ے ملا سے وولو لكوسنادواورسشركو كاذ راخيال کرو _ 
"با با الاس فووا لاله لاله تفلخو إن درلم بيْنَدَىُ عَذَابِ 
شیِیٔی“ ‏ رلحدیث) ۱ 
گرم اضر ین ! 
ھی ال علیہ و کوا تال نے وت عطاف رمال درکیم سرا لے 
کرک ال علي مک رم ینآ پ نے تین سا لج کگھراوراپنے خا دان یں خفير كدت چلال 
مکی م ہی نبو تکا یدوس رام علہ اک تن سال کے بحدالل تی ےآ پک هقرت سوام انا 
کے سا بوت کے وا اعلا نکر کار ایا۔ 
تضوراکر مکی علیہ لم نے عر بك عام عادت ما اس اعلا نکاا تا مایا رب 
کی بیع عادت + ئا اک كول انم اعلا نکر ۹وت کوک خو فا ک خروم ساس باکر موف :اس کے 
لک پھاڑی پاک نمایاں تام كرس ہوکرلوکو ںکومتو بہکرنے کے ل فصو انداز سے اعلان 
یار 2 
الى عادت کے مطا بی حضو ر کرم کی او علی یلم میت اش کے سا صفا پہاٹڑ کی شیف لے 
لن اورایک پھر کے ہوک را رظ رب اعلا ن راا ياصباحاه واصباحاه اهرون کے کا 
اشک شی سے ہوشیاررہوہوشیاررہو۔ 
رم علیہ و مج کے معاشرے می لوکوں کے با سا وع ارت ال 
بے ما2 ےہا آ پک الآ وا لولس بہت انميت ا 
اور ر کت ہی کت ما اک اش دنک برق جوم دارخ دس کی اس اتی طرف ےکا 


ات 200 ۹ کووصفاءپ نو تکااعلان 
كونراتدوينا ارجا جب لوک ہو ےا تضوراکرم نے سب با پا ات او رت وگردار کے 
تن مل ےا یط رح سوا لکیلقذلبشت فیکم غمرا افهل خدتمونی ضادفاام كاذيًا؟؟ 

"سل ن ےپ کول کے اند ایک طو بل ۶رک اراہے بل اع سے میں تم لوکوں نے 
که پیج یا جو ؟ “مہ ایک كيسان سوال تھا ورين سوا ل بھی تھا رک لیس سل زر 
اورا کاو راک ریا 1 اورسیرت وگروارقوم سا رکتااوراس پل فان 2 لئے رت 
را ےطل بكرن روا نکوتر کر ىك ط رف تو جک )کو مول معان دتا _ 

ریش ضور اشم کمک جا یں سا لز ترك کول نیک ز بان م وکر ا طط رح اعلا نکیا 

لو آجربناک برازا فمَاجذفیک اعد 

تم نے با ہا آ پکوجانچا ےگ رم ےآپ شش ی ی بايا - ال نو عق وج مد سل بعد 

حضو اکر صلی شرع وم نے رما اک عل يباك 1۳ 7 ڑاہوں کے ال يهار سك دونول جاتب 
راس ہیں »رش و لک پهاژ اس ہاب سے ایک کر جرارم يق کہ نے کے ك 
ترک اے ت كيام وک میرک بات مان گے ؟ رمل کہا آپ چ میں ہ مآ پک ال بات يهاغتاد 
كرس کے اور ما یں گے ال بحدآپ نے فرمایا۔ 

اس قرألا له إل الله وای نير كبن دی عذاب یی 

بت ےل وگوت حيدكا ارا ركروكامياب ہہوجا کے اور ب جولول می لک مکوای كت مزاب ے 
راسك اورا كاه كرس آيامول وہ عذاب ال تہارے سا ے رف رد کے سب لوگ 
رشاو بل گے کی ف کیاکی نے نا قز اي تضوراکرم کے توب سپ 
طرف بت ری کک ات ے اشارہکر -2 ہو ےکا تالک سار الم آلهدًا جمَعتنا؟؟ 

کے دنرب کتک اهنا موقم نے صرف اک کے لئے تمي عكياقنا؟ ال سك جواب می الله 
تال نے ق رآ نکریم میں سورة اہب ام کر ما مرو کرابوں اوری رگ مول لاپ بكورسواكيا جوا 
طرف اشارہ ےک ج رسول ارگ نكر ہے الڈدتھالی د كنا جاب دتا ےک رک ایگ 
ارددد شرف پا نے سے ول رت نازل مول ہیں۔ 

بوت کے اس اعلان کے جح دح وہل کا یک یم الشان ماب شردر) ہوگیا کیان 
کر تی مکل ےکا کو نکر رخ یواست ہیں او رکو مناج 


على خطرات ۹۳ لصف دی تکار 
ومع وو نر مظال ری جوا ت پک صلی ال علیہ لم گرم لحاس گے تھے“ 
اعلا ن بوت کے إعدمصا عب كا آن! كوو صغابر “ل تن کا علان ہو جا اال کے بعرت 27 
مرا روم وکیا اور ووک تنارگ ابھی زس مرش یه صا دتی الا ہن کے نام سے یدسا 
ا کاب وا ویره کے نام سے پکارے جانے کک اوربکیکر کا جوش یط اجب 
آپ کی ال علیہ وس وگل د يناعا تاد لتا - 
وب قش تضور اکر کے ات کی چنا خی حضو رسای الہ علیہ یلم جب کی عا م یع بال 
قابات میا کی تھا رنب ارش نوواردو ںکواسلامکی وگوت دسية اورفرا-2 "ی ھا لحاس قُولُوا لاله 
لا فلا “ ےل وکو یراق رارک رلوک ماج ت روااورنشك کش ایک اشگاز ات ہے اس سے کامياب 
موا گے تو الواہب تسسا جاورا لوگوں سک اک ہما جاج یی د یود وکیا ہے بع اجھ اھ کی 
أ كرت سے اا سکی پا قیں مت سنواو رک کی حور کرم که مہا رک بش ڈا کر وگو وضور کرم ے 
DANE‏ 
٭ اوہ بک یوی امس ل حضو ر اکر م سی الشرعلیہ یلم کےآنے چا سے کے را تتے ٹیل بھی کے 
با یکر جاک رتلیف کی لواہب کے وو يحض وس اللرعلیہوملم کے داماد تے ا تل نے 
دونو کم د کیم ( صلی انشرعی وم )کی میڈیو ںکوطلاقی دیروچنانران عل سے ایک ہر بک طا 
دس کے حضو رارسا آي اور نے عضو را رمق او علیہ ول رگا ری اور رن 
د ري بتضوراكرم نے ان کے لے بدعادى جوقبول مول ارش رن ا کو پھاڑڈالا- 
۲ ایک دفص عقب بن الى معییا نے حضو رارم سك لكك می يندا ڈالا اورا ےۓ زور کال 
ضرت اگ یی اللہ تال عد درا ےل جان جل ےکاخ رووا۔ 
٭ و دف ریو نے یک سا رتو رارم 7 شوم 7777 يف شم لاب 
ماه دس طرف سے ایگ ساتح تل ہو اتا کان صرت ارس رآ يسک 
نون زجلا ول ری الله ؤم انلك سے ہوجہتا رار ب صرف اسب 
کفارن حطرت ابو کو بھی زوکو بککیا۔ 
٭ ايك دنواب ل سن عقباءكن الى مع اكول پر بمو رک اک ما5 اورفلاں چ اوت کی رکب 
ہوئی سے ا ںکوا کرک ( سل اللہ علیہ لم ) کی چیھ يهال وقت ڈالہ وجب وہ چرت شیج 


ی ظبات_ - ۹۳ کوه‌صفا يرد تکااعلان 
ابل »ينا هتسهآ الد لی کم اوک ری ڈالدی اب ور ے میں بڑسے ہیں درا 
اج ستول ميت خوب اس راطف ا مار اسب ان میس حضرت فا 1نس اکنا و 
س هضور رل اد صلی یلم ےکم اطبرسے ار ری حفرت این مسو ذف مات می کہ 
میں تضور سل پا کوٹ کر ٹیل بتک یک بک راغ تكرول ج تضورفراز سے قاد ہو ۓے 
واپ نے نام نے ےک رکفارکو برو ری خضرت ابن حور مات ہی ںکہ يال نے بدر کے میدان 
یس ان لوکو ںکومردار سوه دا 
يك دفعداویتمل ے حضو را رل علیہ لمکا س رکیل کے لۓ رم شرف يبل بال نماز 
آب رق کیا کین ا تال ےآ پکوبپالیا۔ 
با ايك دفع ابوجل سف رات میں تضوراک رم لی او علیہ ول اوخ تگالی دی میک نآ نا موی سے 
وبال سے شرف نے گے اس کے بعد ایک عورت نے ا جم دی واقیکونضرتتمزہ کے سا سے كرت 
ول مرج ںکیا حر قرم ال و دسلا بال ہو ے ےکن اس کے باو جور وہ ئے كب 
ہوۓ ال کے ياس وخ کب کال کے سرپ کان دے نارق بس سے خون جنا 
ال تفت مٹانے کے لك ان س ابول سكب ا كتزه نے اچ اکا کوت آ رح ں نے ای کے 
بت ےکن گالی دی پر تمه ارت لدان ہو گے ۔ 

:3 اك رال عرفارو قکوغیرت دک رتضور کے لك نے کے لج روا کرد جم رفاروقی 
ای وت کیک سادا ن يل ہوۓ تھے دو کے ارادے س ہر سے ست ےک اللہ تال نے ا نکورا حت 
عل اسلا مک فو فی د ےدک جوشپورواقعہ سے تق یش اکر رت اق ا مک ناچا سج تھےگرابوطال بآ ڑے 
آجاتے اوروولاگ با ڑآ جاۓ - 

:ايك رفو قرش نے ]رابوط لب سكب كراب ميرم ہوناچا سم کے سا جج ہو جا و 
ا نک ہار ےم ہودوں کے ہار ے می كنا ارو نيا کہ ے ال وطالب حضو راک ر سی الہ 
علیہ و مکو بلا ا اورفرما کہ ميرت کے !اب می با گیا ہو لآب میرے بذعاسيه پر کے ایی 
جرال ری کم تلا سکول راو کلف اناز ےآ پک پر رک پیک کی 
کر ہے ہیں مورک رم روت او رف ا کہ تيجا نآ پآ رام کہ يل اورآرام سل میس اتال 
کے نکی الى کو ابل موسر ےلوگ یر دا يل بات میں سور اور ا میں مر لل ما ند 


على خطبات ۴ کووصفاء نو تکااعلان 
7 مس رگ این دعا با زی آ و ںکا ,ضور اکر م ردو بو باسك بای سے عل 
ے۔ 
وطالب ےآ پک ویھر بای ار تیکسا قوذ و ں کا جو چا وبدشل دفار 
کش شکروںگا۔ چنا چ ایک دف یڑ الوك الب کے پا لآ اوه ےک ہہ مآ پا رم 
1 اكول و جوان دی میں گےآپ ا لک كمال اورک کو ہمارے وا ن كرد يلحا اہم انكو كرد 5 
ابوطا لب س ےکہاواووا+می سهان تج روم + سک ردواو رانا س کا یرال رکھوں ی جیب فيصل 
اس کے بعدق ریش نے اتان متو راشم سے سوک ایکا ثكا اعلا نکیا وراک رتاو یڑ کی معاہرہ 
کک رکش سآو یا کیا میس ام سے ارت ب پان دک پات چییت اورسلا کلام پر يامدق غر ید 
فروشت پر يابندك كار بياه ب پبشدک» باہرسے فان سے جانے ب يإبتدى کی فو ارد قالے ےکی انر 


وه 


جانے اورتهاد تک نے ب پابندگی کاو ان فيص ہکیاگمیاتھگو یا یسل نال بندى موی ی اورشحب الي 
طالب کے اندر ہن راشم سکم او رسكم تنام افرادسوا ست اموا ہب کےگصور موک رہ گے ,ان سا لكك 
بوك اور بياس می لصوا كرا اورتضوراكرم ونم وق گر ارا مک اف رادچھو لكك و ے بے مول 
ہوکرکرجاتے تھے كذ کے بع رآ پ کی ابش علیہ یلم ا نارس دسي کہ ود رجات الشدتقال نے 
ہار سے لك مت ررفرما لے ہیں شل با ہو كال کے یی رييتك اليف گنل - 

تن سال کے بعرم وکل با کم کا طا یات معادوٹڈٹ يورتو رارم الم بم کاب 
كرام رضوان الل تال یما مین اور اشم باجرة گے 

حضو راک رٹ ی | علیہ لمکا | سا ب وتال ب لا 

جب ابوطال بك تقال يا قرب نے تضور اکر لی الث علیہ سکم پرمصاب کے هارو 
روکد ۔ابوطال بک وچ ہے ترب شک لک رتضوراکرمم يراس _ لآ ويل ہوتے ت ےک بوطلاب 
ود فرح کے د يبن پرتھا۔عصاب کے با شن کی وجہ سآ پ نے خی لک کہ ق ای عرب کے ملف 
مردادول سے را كياجا ست شای د كول سرداراسلام قبو ل كر لے اورپگران کے ال گے اوریرے 
مات ترسنک یل جا احاد مث نابول بل اورا کی طررع مارت نابول می اس انل 
عرض على ال قال کےنام سح يولي ا كياج ]کن قا ل پا سپآ پاچ کہا ۔ اس سللل میں سب > 
لپ اش علیہ ول قبل یبکرش گے اورف رماي مائو قري كلذ اس لاز وال نو رايا ےتم 


مع دا _  _‏ نا کوه‌صفا م بو تکاعلان 
لوک اف کرو لکراواوریرے بد اد ال بل نے ال وگوت اب كلك وج سے ردگرد با ,رای 
طر ںآ پ نے تو قطان ٹل جاک رای ےآ وف كي ايان نبول بھی فت از بیاجواب دیا۔ 

اال کے إعدشوال ےہ نبو یکوآپ ا کے يا زیر بن عارش کے راهطا فک طرف روات 
:ةط ا كف كسح چن کل کے فا سج ال وقت ورا تين ہیا تیو لك كومس تھی مل میں ایک 
كان عبد یا تل دوس رس كانا حو اورتبسرسكانام عیب تھا آپ نے کوت اسلا کرش سے ان 
ےا ط تلو ريال - 

ا ےدارا تیت !! ال كلذ ارگ براي تکوقبول کی او را کے رسو لكوايذ اء نكر 
کلک دمو نے يريو كديا سج »كرت اسلام کے ما ھی بنواورالئر کے رسول کے بر دوه ری سعادت 
بوك ان وگو نے ترب کک سکس تراک ای موز ران ےکی زم کی لها ےکی 
تک الآ پک بات و ریا الا اس گے اورعادتعرب کے لآ سل الط 
كنت برا له کر در کم د سے دیا ايك نے جواب می کہ اککیاخ سکع کے پردہ ياك 
نے کے لے تچ كوضى بنکربھیچا ؟ ددس کہا ہکیا خداکو اس رنه کے لے تیرے 
سوااورکوگ یں لا ؟ تم ے ن ےکہا کہ لته سے بات ہنی كرناحا بت ہو لبوك ہاگ رم سے نی 
بو پچ رت اکا مانا خطرناک ہے اواك رو بو و کے ساتھ بات کی کی كر ليا جخ- 

ال کے إعرا بول ےآپ يصل ابعل مل مک رات ااي اور کے اد ياش لول اورغلامو كو 

آپ اس پا مورکیاانلوکوں - لد چا سے اراد ہو ےآ پر 
سا دیا رات کے دونو ں طرف باداش لو ککھٹڑے ے اورقدم قدم پرآپ يبت رمساسة لك 
یبال کر سل ال علی ہنم رو کک انوس ال کے اهاپ ریک پر ربيف گے 
ارال تال سكسا عن ال طررحالتيا اوردعا کی ! 

مول كرك ! ںای بے" بھی اور ےک اورلوگوں یش رسوا کی شکایت تم ے موا کی سے 
کروں؟اے اللہ را پروردگارے نو يح ےکس کے جوا لكرجا سے ؟ و بك هیر ونو ںکا شکارنہ 
بنا ا ورمن لفو کو بے دار بھ سے نا را یں بو بج ےس یک یکوئی وال 2-2 
نت مك دركار سے او تیر تفاظت میرے كال رات کےا نو رکی پا گنا ہیں 
جل سح قا متا ركليال شی سے بدل هال ہیں اورديادا فزت کے مھا ے ان جات ہیں »ل ل 


ی لے 1 کووصفاء ند تکااعلوان 
نار نہ ہواورییری مفو كوس طررح متا سب بل فریادے مک یک قوق اور عمال سے بچان ےکی 
طاقتصرف تر ے پاک ے۔ 

اس جل لی !ور بای دعا کے بعد اللہ نے ایک فرشت ییا جو ها ول کے امور يبرد ثما اور اتر 
ريل امی بھی تھے حضرت جرح نے فر مایا آ پم فر یں یف رشي عاضر سج ءطا نف والو کی بش 
تال ےک لی ا بآ پک تی پاش طائف داد لاف کے دو پاڑوں 


ےو رمیا ن بل رود تک ایا رآ سيكو سج 

تضور علي السام نے جواب ديا کر دب نے کے رصت نا کی >2 ل برعا بل 
کرو ںکاء موک ےکا ن لوكو ںکی او وی كول مان دا یوک مر ند رل جانۓ ں۔ 

اس کے بعد ثريب کے پا والوں نے حضو ر کرم صلی الد علير کیان ليإاوراب 
واو رکا خوش طباقی یں رکوکر وكيا ور اکرحسکی الیو مه طقف والول سے بر درخواس تک یکر 
رت اس سر اطلارع عل والو لت کر کول وه لوگ بك مز یدنگ کر بل کے يان طا نف کے 
ولس هآپ ےک نے سے يكب ا نکوا طلا را د ےد کہا دایعا ہوا آ دی تم نے اين شر سے کال 
دياس كوي تم نےتمہاری خاطرا نکو ادن دک - 

حضو اکر م صلی الد علیہ وم وای ہوئے لواب كلم لاسي 7 مس رال ہو مشكل ہوگیا۔ 
کون رل مز یرلاگ ا ےک 2 مار خلاف عار قال نوست بروطل پکرر ہے 
قالوانه رجل استعان علینابادائنا مارم ےآ دی تیاو رای یکا روا رض سے اد 
درواست لک حك اپ بنا شش دک سکم لے جا رال نے اتک رک دیا ی رآ هبل بن عبرو سے 
ررثواس کی ال بھی اکا رگردیا رپ ایل علی بل وم می عرى 1 ناو درک اور 
ہو رآ پ لی الث عير گر مل تارذ لنش رکھا۔ 

ددر ضورلا ل علیہ کم تانب وس اورآپ مرت عات 
یک دوہ سور سے ب يما کاپ پرأعد کے دن سا یکول تد نآیا ے؟ تضوراک رم فر ا يكل پا 
طا فکادن رک زد کات تن دن تھا۔ ا ط رح تضو ری اللہ علیہ یلم نے دين کے رن 
دیں اد تھا لی بی تیک اھا لک معطا اے۔ آميت 


على خطبات ے۹ کووصفا ء يريو تکااعلان 
تھے ہیں ایک جرب رک آراوں میں 
حون شق لے ای ريال هل 
دی آذائیں ی ورپ کی للسائل میں 
ھی اریت کے جج بو کرازل عل 


شان آگھوں میں نت تی جباندادس کی 
كل پڑت تھ م ادل یس تلوارس کے 


م عت تھے نو جنگوںکی مسبت کے لے 


اورمرتے کے تیرے نا مکی تمت کے لے 
ريلف گر کیا دج ربل دولت کے لے 
اعادیث 


ا 1) 


عا وشام على لجع اوی ان فر نين عق بن فرش کی ان 


عل لرل تشن أن 3 سل سلا نرت كه یب نش 


ماجرب َْعَلَیک؛ الاصنف فالا نذیر ی ین يَدَىٌ عذاب دال ابو 5 
تالک سائر الیرم الهدجمغس یزان «إتبْتُ یداابی بو تب ماآغسی عَنْهُ ماله 
وَمَاكَسب4. (بخاری ص ۰۳ج ۲) 


على خطبات ۸ ضوراک کی ال علیہ دلم کے رار 
بمو ٣٣‏ ری الاو ل ۱۳۱٦‏ ۱۸ء گت ۵ء ديد جا سد اس دوڈکرابی 


موضوع 
تو راک مکی الوم کے زات 
مم شراگن ارم 
ریت السَاعَة رشق مان رویسر مُسْتجِر0) موراتس 
پا ںآ كل تا مت اور پم گیا چان اور ا ده ںکوئی نشی تو اعرا کر ہا ل او رکا ے چاددوے 
يعدت علا ح. 
رم درو 
ول سل رد ول مکی ری زد ای ون اا زاو روہ ہے ۔آ پ کی اش علیہ یلم 
کا انمتا تا ءکھاناء نا چلناء یمرن حلي مبا رهق وا مت سونا» انا سف رط راور قیام وکظام سب ایک 
هداس سے عا انا تک لوق اج ل اس سے کل 
کرو ںگا بل می تضوراكرم کے دہ وا زا تپ سكسا عن درکھنا چا چنا ہوں جوا نم اوركوام ناس 
کے ے اٹ سی وامینان اورذر لجع ريدايمان دايقاان ے۔ 
معجزه: اگازے تال کے ن عا جز بنانے کے ہیں اوراصطلارح ره ترف 
الطر>.0 الْمُعْجِرَة آمر خارق لَْعَادةيعُحِرٌالْبَشَرَ آنیاتوابمثله 
نشی جز ہا ها رت عادت ا مركا نا م س ےکانان الک کل هلر سے عا جر ہین تام 
انان ا ںام نارق عادت کے ہی كر نے سے عا جا بول '- 
إل الدت الف سك د سيت سے انیا كرام اف نبو تك تحمد ان کے لے مز وكوكوام اناس کے 
عاك لك سة ال ۔ 
رسو ل کرک کی ال علیہ لم کے زات هل سب سے بدا رداك تراک ۲ 
کی ريفات سے کفوظ ‏ اورنٹس مل واقعات اطي افیش 1 سے ےک یرم کل ووک 
مدان ول فان سكسا تحدمو جرد ہیں اورداتعاتوعالیہ پر كناب ہم جبات سيط اورواقمات 
لاح نشٹان دتىكرل س ا کے واققات اف ما اولح نات .سب بش 


ھی خطبات ۹ ضور اکر مایم جات 
راک سے تن وال عاج ہیں۔ - ال كا بلاغت وفصاحت سے اتصاۓ عام نصىا, عاج ے 
اور ہیں اور یں ح ےکا ررب نے میدا ن کارزا رس ہر مکامقاجلہ کیا اپ یکرو لك اد يل بیو یو ںکو تيده 
اوی دیول مایب ایک ہولرکٹ مر ےکن وگ نک وت يان سے چرگا تکام الله ۔ 
سابل دل كه دہ رآ ترآ نی یکی دل سورس پاک چون می سور لاس اور بنانے سے جب 
5 الاعلان عا 1 سك ؛< تنب جاکرانہوں نے ارو لاور نیز ول کے ہا کے ان سراور حت رک 
دیا ۳ آن ا نلوکلام کے میران یل عا جز كرجا لوه لال جنگ کے ميران 7 شرائرے 
رب ام باخام اورنضها ءكا اس رع ا كلام کے ساحن عاج آ جانا اور کک عا ج رہن حضو راکم 
کاببت ذأ مهس 

تعاس اہک رح امت ق یو فر بای رد دی یفن ره واه 
کے بعدا لكا رک نے براجت عز اب ا ہکرام تکااستیصال ہو جا تا ہے :جع كلو مود قوم عاد اورت م فركوان 
ويرك وجب ا نکی فراش کے طا لس دکھائۓ سك او ريرق انہوں نے اكاركرليا تو ارت نے 
سبو ہلا کرد با ار یہاں ضور اکر مکی اللي وچ رخ الم نآ پک امت اتاگ طود ير 
عزاب ےآ ا پک وت ےکفوط هاس فر لجز وبل دکھا اگیا_ ا بتضورا را وم - 
زات ماع تفر ما یں تا کبزا تک ہم کیک کاانداز :ہو کے ۔ 

5 م وات لح بر ات 

اسل تضوراك سل الیو مسبت ذا تزه ”شق القمر “ کا رہ ےن 
حضو ركسل ار وم کے اشمارے سے چا وا 
٭ حمر ال سے رداییت ےک ا کک ےو رام ال سےسوا لک یا پکولی 
نال اورہجزہ از آپ نے جا ند کے دوكر ہو ےکا مه دکھا یا با كك كول نے د یکمک 
تماما ند ےروگ وں کے درمیان ہے۔ 
٭ ای طرں عبر ارثر ابرع ودرگ ابعر ا ے ہیں ضور کرم کی ال وم رمارگ 
چا ند کے دوکڑے ہو گے يلكلا بهاذ کے اد چلاگیا رورا چلگیا فو حضو ر اكرم ےکفار 
ریش ےکا 2 واورہو_ (بخارى سم ) 
٭ ملا مث انی سور ق کی ابتاک یآیت کے تلتق اس طرحتقی رذ مات ہیں کرت ےکر نمی 


“ل خطبات ۲٢‏ ور ارم ار ر 
سق در را تفارک تابون نےآپ سكول نای طلب ىآ نے فیا ما نکی رس 
رجو اند پیٹ کر دوک سے م وکیا ای یزان میس سے مضرب اوردوس امش ر کی رف کی پاش 
پہاڑ ال تھا۔ جب سب نے ائچھیطرب رجز کول یا( تی دوفو ںآ ےآ بل ملل کے كفار سفوا 
جع نے چان ریا م ير جادوکرلیا ہے( جج ز لین اف رکچ ہیں )۔ تضی ران ١١ح‏ ) 
٭ علا کان عوکی رم ال علیہ نے اس داق یکو کل ہا نکیا سے خلا صملا حظ لكر يل 

رت مد بی سے تقر یا يارج سا لکل شنک حضو راک رم يال جن ہوک رآ ئے اورآپ سے 
یدرو اس تک اگ رآپ نی ہیں تو اس چا ند کے دوع کے ركملا میں را تکاوقت تھا اور چودہو بی 
كايا تھا آپ نے الج شان ےد عا کی او راکش مہا دک ے چا ندکیطرف اشاروف راي اى وقت بان 
کے دوو ے بوك ای گیل اليل تا اوردوس اكلا جج لقیقعان تھا دنک لوک د کے رت 
جر تکا رع مت کال ۲و کول سے لو کے تھے اور نك طرف بے ےا صاف دس 

نکر ے ل او رتضوراس وت ف رار سے ےا ےلوک واو رم وگواو رمو (سیرت مع جحص۳۴٢)‏ 


22000 
حضو را كر ل ایهم جات یں ایک شپو زور داش لكا وی ہے ری[ غاب 

كاغروب ہوک رک لآنا۔ 
1 مرت اما ء یز تم سے ایک عد یش مردئی ہے جم کا خلاصداو فی ا سط رع س فد 
تیر کے موق حضو ر کی الف علیہ وم متا صبا میس تھے تحضر تک که سآ پ نے سارک راتا 

کہ دگیکانزول شرو موا کم رکا ون تھا حر تم نے از تھی فا ب نروب مرول 
ول أو تضور سل الل علیہ وم نے بوچ کپ نے نماز ی سے ؟ حر تی نے عو کیا ک کی٠‏ 
مور نے اوقت دعاب کی اٹ تدا لی نے سور عکودو ہار ولا دیدرت مر نرا زاگ - 
1 مادک نے ال حد ی ٹکو کہا سے علا مسب نے کی ت باس الب این تھے اوران 
جوز نے ا وات وکیا س امس سے ت کے ات پاک سالگ زرا بھی اس 
کباب ( رت صطد عضص۳۹٣)‏ 
r‏ نوی کے بعد جناتکاآ ان جا شاب اقب زر سار 
کرات ل سے ہیں ای رح رات کیکھوڑے سے مه تما مآ مانو ںکی س ےکر کے ای راتکه 


ی خطيات با حضو راک رم الشدعليرو لم کے رات 
وال یآ ناء جنت دوز رع كاي رک نا عدر ۱3 ی ست سكلا مكان جانا مرا جع کارا مت 
را کےسوالات پیت ان »اتح لکرس ےآ نالور پک ہرسوا لكاجداب د يناق ريل ك6 ف ےکی 
ھی کی کرد ینا ء سسب جز ےکا نص دتما اک رخ تيارب مس فک ناش یکا جناز وسا ےآ نا اور وم مو 
کے میدا نکانظار کک ہوک ےکنا سب زات ال یکا حص ہیں _ 
N‏ اک رں آعان کے با لک آ میسن ر ہا معا معاوی اوی ے لق زا تا ایک 
حصہ ہے اک ط ر ںای د یبال کاداقع ارق دغيره احاد يثك كنا بول می ککھاے جن سکامفپوم ومون 
ال طررة > لايك داسف کر بحعہ کے روز ترآ پ کے سا ےکی اک يارسول اش باش 
نر ہے الى دعيال اور مال مد مق ب يان ہی ںآ پ بار کی وما یں ضور کر مکی بط علیہ لم نے دولوں 
اُٹاکردعا ماگ ی 1مان میس باد لكان م دشا نکی تو تضوراکرم نے ابھی ات شل کے کر 
يباو لكل طررح بادل الك مورك اور پار شرو .کی حضو رس اد علیہ ول رت ا7ے 
تلع هلآ پک دا ڑگ مبارک سے بان كايا یرم پا اورم وسلا دار بال شرو رع موی ی ایک ہف 
کک اک طط رم ہاش مول ری پا لک كك آ يده جح مروت د مالیا مکی اموااو هکت رك کر يارسول الث 
7 سے مک گر گے اوراموال تاه موك آپ عار سک بااش بتر ہوا ے “ضور اکر م ے 
دو تھے اٹ یکر دعا اگ یک پ مکی اٹہ عا ےمم جس طرف باتجدكا شاد فر ہا سے وبال سے باو ل چٹ جاتے 
ہا کک تم اہر ے تر وعو پ کل ی ای ےتا اباب فرش باها سب - 

ری نتسش ی الم امب روجهم 

مایت امىئ غض َة إلارايل 

مات سپ" ر ا تکا طبور 

1 مرش جبآپ صل الد علیہ و مک كم وکا سیر ہی رشت دارو ںکودکوت الام دید ی 
7 پل ال علیہ وم كعا ف كاامتما مكيا رداران تر میں سے چا آوق ا کے ہو ۓ ے 
ادرکھا نا سرف اننا جنل سے ایآ ری صرف سی رسكنا تھا وت ای ک 1د یکاکھا نا يبيث رگ الیل 
آدیرں کھایاادرخوب رمو گے اویل ے پیز ر چا ے۔ " 
٭ ارت سل دوبيا نآب ملاع و مک از رام مر گیا ایک گورت کے مكان ہوا ءال ے 
اك سبمان لوا گور یی حضو ر اکر ماو رآ پ کے ساتھیوںکو پاک یکی ی او رکوک گی عرثقاء نے 


“می خطبات 2 ورا یام کے 
جب ام معد سےمعلو مکیان زی" جلاک ہکھانے کے لے بر بتو اکم نے ایک بر یرت 
ف رايا كرا ام معيد !اگ رق اجازت ديد ع یل ال بكر ی کادودھ ولول »ان كباب يرق يارق 
اود ارک وكزور یکی وجہ سے جسن کے لے دور ی كل نول کے سات میں جل کن وای بل وو 
کہاں ےآ ےگا ,ضور اکر م صلی اللد علیہ وم کمک کےکھنوں مہا رک ام رگا تزرورر کے 
درو ںآرمیوں کے لے كان شاق دود مهيام وكيا سب نے پیا ءچمردوبار و تضور ف اک بن 
یں اتی دود کال لول سے ب یدک طرف روا -4- اتف چیا نے ط ر ںیا نکیل 

رال سرب السنساس عَيْرَمرابے 

ی تین خلاخسمتسی ام يب 

ال تا لی ان دولول ريقو ںکوجمزاۓ رد ے جام مهدجه یں ا رآ ئے. 

ستواخت كمعن ضاه اون ها 

نل اتود 

تم انی جن سے ال نکی رک اود برت ی کاعال در اف تکرلواگرخم ری س ےکی دریاف کرو گے 
کرک وات در ےی - 

٭ رزو وک میں مسلافو ںکوشد یو کا امتا ہوا رفا روق زگ الثرعز نے عرت سکیا یارسول 
لآ پ تام مھا بیس اعلا ن ر ماد یکین کے ال ج جو راک سے دہ ایک رست خو ان برا کر یں پھر 
آپ ئک کی دعاك يل ہآ پ مل العلیہ نلم نے ناکرا راہ ا او بد 
سا ماس توم کرو اکر برک یکی رما اک اورفر با اکر سب لوگ اين اس بن نکھانے ے مرد 
چا چ مار سے کے اپے امن اورکھا نا ب کی پا تھا تضوصل او لوم نے فرب کہ 
وات د يامو اکٹل الت ہکا رول مول - 
7 ایک موہ بترت الد جرم قريب اس دس كور ےتضور ارم و ۷ ل اورا 
ال نل مرک تک دواکر یں تضوراکر کی ال لیے یلم نے داو ےکر ہکم یکی دا ما گی او بط 7 
ا كدداب ںکر کے فر ا راسمل یں درکھواور جب کی اکھانا جا موو یی ارس اکر لگا 
کومت چھاڑو ۔ رت ابو ہبہ شی اللدعنفر ماتے شك شیل نے منوں کے حاب ےکور انش 
اس مم خر پگ کیل اورہم سب الى سے غو ببھپائھ یھکر ے حتدتل مير کر ےکی رگ 


على خطبات rer‏ ضور کرم یام سک ات 
یہاں ت حطر ت تان رش ا ع نشی کر کے کے تور موی شما دتا نکی وجہ سے اس 
ب رکٹ کے اشن بطرت ابو ہ رین ا سط رح افو ںک یکرت تھے ! 
ناس نَم لے لان 


فف جسرابسی وت غشسمسسان 
مت تن ول صد هبن سے کان بے دود ع ہیں ایک میرک ہک دا تی یکا 
ہونااوردوصراعثا نکی موت“ ۱ 


ريل ایگ ود یتاذ پ کو ہر وروش تکھلا یا می انر علوم نے 
ج كوش تکوم ےل رکھا و با ری کےگوشت نے بناد کہ کے متكا سبك جحت مم زجرلا موا سج جنا نيه 
آ پ مل ال علیہ مل نے ا پیک یفاک کے بر کی اس دق نے بتادیا۔ 
+ حفضرت چابررشی اللدعنفرماتے ہی لکفزد؟ خنرق سمو پش نے د یک اک تضورکی اللہ 
علیہ ول کرت بجو ک کی مول ہے ورپ نے پیٹ دی باند تھے بل لك ملو آیا اورآی كككرى 
کا یج ہمارے پال تھاذ )کہ دی اور بيك سے سول اكرم ے فر ای کرش نے ایک صاع جک آٹاتیارکیا 
سے اوركر کار کیا ےآپ اپنے ات جند سق نےکر ہمارے پا کیاکی میں بتضوراكرم نے 
شکرس عام اعلا فر ماد اک جا ابر نےکھان ےکا انا مکیا سے و وک ھ اکر جا 

حضو ر اکر کی الل علیہ کم نے بج سے فر می ل ک مرس ےآ هک ککھان فكو رت لگا اور 
كرشت مت کاو چنا حضو راک رم صلی الوم نے اکر نے یں لعاب دان ڈال ديا اورا ک طرں 
کوش تک بر با یل بھی اورفرمايا لآ نے ر اڑا ل رواو ر بے چا LL‏ انيثا دادر مزا چولب 7 
کراند رس كوشت ا لے موركلا کے اء خضرت عابر “فرءاسة ہی نک ایک بای بین نے پیٹ 
ررکم گاید بائذ نل سان ا بک کر اتوااورآ ی ای رح موجودتها.- 
٭ حطرت الد ہرس فرماسة ہی ںک یک دفعہ کے باك نے »بت زیاده نج کیا او شی را تن مل 
کرام خضرت رفا رون * ةفش نے ان سے ایک مر بو بها کہا نکر بمو لكا امال 
دبا تيك ا نکوانداز وبال ہوا نیت لگ رصان 2-7 یس نے ان ےکی ست وجا كران وى 
مرک ککاا اس نہہوااور لے ےپ تضو راک رمس الم اورفر ب کیا بجو کک وہ رات 
سکھٹ ے ہو؟ نل ےکہاگی بال بتضور نے فر مایا 7 ات وگ کرات ںا کاب صف کے 


على خطبات rer‏ 72700 دادم گرا 
ےکی نے دود کا یا پالم مير اخيالقنا اک ضور بحت يلا بل کک رض ور فر اي كرجا ما اب ص 
ام طط کو بلالا 5> گیا اورسس بكو پلا یا اورخیا لآ كال يل سے جج ےکیا لكا يان چاو ييد ۶ ۱ 
اور فريك بيعل ان س بکو پل 5 م نے خی لكي ل جب سب بی لال ےت ج ےکی لان 
مک نج تاغل نے س بکوبلا ناشور دیا حاب صف تنا م لکیہ نے پیٹ کرک فى لیا کہ الب دود 
اب بھی يتاك دا رو الش علیہ وسلم نے بج ےمم دياك داب ویش نے قوب پیا عضو فر اکر 
اور یوش نے ير بها حضو رک ان علی لم نے هذیا کید یو ٹیل کہ اک یارسول لئ خداک یکم 
س نے اتا ی اک دودح ناخنو لكل :کل ریا بج بتضورنے يال ےکآ ر م خو وور ای اوردودم 
یاد س هک کاب صف ےکی تعدادکم از اک (۸۰ )کل اورزياده ست زیادہ جا رسو( ٣٠١‏ )تك موی 
وت رت جاب رس التہع کا بیان كدير وال رصاح ب ا رک جیگ ہیر ہو گے اور بت 
رض بچھوڑ كك میں نے قرطل خواہوں کے لئ وچ ورين شع ک لی »او ےک مرگرس 
یانش ےتور کے سا قم جیا نکیا اوہ اک ہآپ وبا لأا بل ت کی رض خا همه 
اکر جو لے سی دم ےرا کے اداو وین میں سس اکر کے رک ب کھلیان 
نود کے اروکروجین پارکھوے اور پچھرد ہے کے لئے ورب سکم جنا کا پل ال علیہ یلم پاد 
2 تے در ہے اور رش خواہو ںکودینے ز سے بیہا لكك كرس بكاتن اداہوگیااورکلیان ل اب بی 4 
ور ی سکم يدا ايك دیق (بخارى) 
پل حطر تاس ”فر ست ہہ ںک ایک دف فور اکر می ال علیہ ول مکی شاوی نان اوک مول یری 
دام مس ايناكر أي كا سل کار ےکی اکا تسه بال نے چا وک 
اول اش موی ھن میرک دالدون ےآپ کے لے يباج کان ناو رض رن 
علیہ د مکو لیا ضور اكرم نے رماي ہکھا نا يهال رككواورجاكرفلال فلا کو لا مس نے جب ان 
یدای درل لوول ہے مرا ہوا تقر با م سوا رآ دی ضور ل ایو پات رکا 
ادر رال دک آدمیو ل آوکھا نے کے لك ترا سب ےکی ایا رتور فر ما اک اے الس امه 
لسن ج کاس ایا کے معلوم نہ ہو کک رکھتے دق تکھا نا ز یرت ب نا وقت زياد 
ہے ۔کھانے سح ال دازا تک و ليان میس نے چندکا 0011 


على خطبات تو 2 27 ات 


سج زا تک تور 
با رت جابڈفرماتے لكاي عد یہ سك موت یر لوكو كوش ريد پا كلق اورتضو راک 
سا نے پا ی کار ف ایک لوٹارکھاہواتھابتضوراکرم نے اس سے جضسوفر مایا اھ لا كرا مآپ کے باس 
7 اورفریائے کے کہ ہمارے يال ذداسائی اس صرف وه إل سے چوآپ کے يال اسل 
میس ےتور نے لو کے میس ارات دمآ پکی ایو کے چ ےچ شو کی صورت لپ کے 
ادس جار + لكوتم نے لىاليا اورضو بنا صرت جاب ب جماكي الآ ول کے ے؟ 
ري كرايك اكاك مو ےکی دہ پا ی كال ہو جا جاک ن کم رذ زار تب 
% رت برا بن عا ز بکابیاان ‏ کرام عد يدث للق ييا جود وسوا وی كوبال ای توا تھا 
کون نے ا كاي لى استعا ل کیا وکن ور کاب انی ت مورک قرو ہتحضوراکرحمسلی ات عم 
واس كاييع چلانذ آ يكنويل کےکنارےتشریف نے گے اوربیٹہ گے رپ نے کے لى ملا 
اوروضو بت كر دعا کی او کا پان کنو یں بی یک اورف رايا یواست لپا بل هذا اورسب 
وو سير بوكر یا او را لکوت يلايااوريرجد گئ۔ (بخارى) 
7 رت افرع کامیان ےک ایک وف حضو راک رمس الل علیہ وتا ”ورا “ل ےکآ پ 
نے ایک بن میس بات رکھا پک اللي سل درمیان سے إل کے تش جارى مو كسب ولول نے 
وضوبنايا_حطرت ال غ نے فر ما اک اقرا ین وآ ری تے۔ (تنرعل) 

إلى سس تلق سس مزا بھی لین ٹس نے چن ترا تک هرپ کے ما سکیا ۔ 


ورضنوں ےق زا کاظپور 


٭ حطرت ہاب“ كابيان کدوک نے سے پیل تضوراکرمم جع کے ون خطب کے دوران ایک 
درت کے ان مزا ےکی کر خطبرد یار تھے جب مر تیر ہدیا او رآ پ ال بيه كت 
ان نانز ورز ور سے اور لگا :تر یب تاک یت کی وجہ سے و ها سکس موی ما پر تضور 
ر سے ات گے اورا كو نے سے لگا ان حنانہالیمار ور اقا اكاك یل سس روت سے 
( ضور كودلا سد سے ہے )يبا لي کک وو امیش ہوگیا۔ يرون تضوراكرم یف را اور کر این سے 


دورو ےکی م ےتھا۔ (بخاری) 


مس خطيات 0 ع حضو را ٢‏ لل اا م سای 
ل صر 


لت ا E‏ 


کہ یہ اونت مھ برفروض کر دوہ ای ےکہا ایک ا گرا وف سے ش نکاصرف 01-7-7 
ضور ہرم نے فر مایا نو را وچ لا پلا کول ال نے شکای تك ےک ہے کک 
لے میس او رکا ت ےکم نيل د 

٠‏ خضرت سال فرماتے ہیں پھر ایک لضو رمو کے أو ایک درشت ز می۲ نکو چمجامواتضورا ار 
يل آيا اورسلا مکی اور لیا تور فر ہا کہ الى درخت نے هلا مکر نے کے لئے الد سے 
اجات ماگ فو ایند نے اسے اجازت دے دی ما فرماتے لک گرا راز ایک يسن پرجواجہاں 
اک نون لز کےکوا یکی مال نے حضور کے سان بجی کی ضور ا سکوناک سے بل كربا كل 

جا شالت ,سول ول بوا کی ضرف ا کورت سے لو ما وه ضرا کم وكيك ٹاک 

ے۔ 

جا حفر تک ہن الو فرماتے إل نك جک تی میس نا كك براي ےکا ری نتم لگا ءلوکوں نے 
کلہم کیا سے مضو ری ال علیہ وسلم کے پا ںآ یا آي نے تن جارمی رک ٹا نگ می د مکی اس کے 
بحرا ب كك ال نا كك می لول شكا يت یں ہوئی. 

5 خضرت ابوڈ دک یآ کے تلك اعد لت سے با جرال آ اتج س كله ےک رتضو رارم 

ل ایت لیے روم کے يالل يك اوري كك ےکی درخوابس کی حضو رارم نے ہک ےکو ابی يلل رکوکر 
دعا كل اور بت را ا وق دوفرماتے ني بق ال كلد ل درطل ہوا - بہرعا لی زات كا ایک طول 
سا ےنس نانک کم تفا ایا نکی تفا آمین 

«اغظ تقو مکی دہ بخدخال دی ملق درىشعلسقال د ری 
7 م اذانددي بالا در قلف ره گیا تن خزالنہ ری 


کی مرت وال لل مازی نہ دسج 
من وه صاب اوصاف تاز د اے 


تم خافوں می کت میں کان گے > فان للح تبان گن 
منزل دمرس اوشؤال کے خری وال گے 33 بغلوں یں دہاۓ مو ران 4 


ھی خطبات ۳۹ زرم ی اي وم ات 
عن ازاون غازبِ قال مغ زسزل اللہ ضلی الله علیہ وس ات مغر 
7 تی 
ےم فا لس على شهیرها دابا ن اء ق ضام نمض وَدعَا فم صب 
همقل دغرهاساعة قرو هم وَرِكابَهُمْ ختی إرتخلوا. 
(رواہ البخارى مشكوة ص ۵۳۲) 
وعن یعاس ال صَلّى اهب وم الم بر هلال 
احلوبراس فَرَّسِه عَلَيْهِ اَاة الحزب (رواه البخاری» مشکوة ص ۱ ۵۳) 
رق مزع نجل دز لى لوس بقل 
کل میک قال لااستَطیع قال لااستطعت مامتعه الاالکیر قال فَمَارَفَعَهَاإِلى فیه . 
ررواه مسلم مشکوةص ۱ ۵۳) 


6 جہچے سے حم صن وسه 


| و ہے ۳ - 0 ہے 
جع ۲۸ رگ الا ول "اما" رامت ۱۹۹۵ء مد يجا ت جد مل دو رای 


موضوع 
حضو راك رسك الوم ذبات 
هنارک ارم 
ان 0 و لقلم وَمَاِيَسْطَروْنَ م‌ناانت بنعمة زک بمجنون ٥‏ ون لک 
لاجراغیرمنژنه 44 
3 تم میارج وک ہی ںآ پ اپنے رب کے لت دا لادپ کے وا عل بول بے انچ 
د قاق ان فی خی وَفِى خلت 20 رَلَمْ یداو فى علم ولاگرم 
چہاں کے سار کالات ایک تم لل میں 
ترا کال کی مس تبس گر دو عار 
كر محطرات ! 

شر نرم یں تضوراکرم گی صفات سمال او رالات عا ےکا جا ہا كرو موجودسے یکن 
سور لم شل ال توالی نے أيكمنظرد اندز رسول السك الث علیہ لم کی در اورصفات وكالاتكا 
ثبت اور ویو ب کی فر ادق ہے كدي كداثدتالى سے اعلا ن بدا ےک ال ابش ارام 
اسنات نی ہیں يبآ تل اس وقت اتی گی جب ر حضو را گرم علیہ وس مکی نبو تک ترا اقا 
ارآ پ پمرددل یل سب سے يكيل ریت یرصم( ركورنقال ل سب سے یط ضرت مد یکم 
ادغلا مول میں ١رت‏ ز يد جن حارش داو ول یل سب سے پیل حر تی يران لا ۓ سے حضو رارم 
کل الیرم ریس بی کان حرا تک يدوا يما نكادرل دي كر تے ےب یش کبک 

نون :کیا ہے ادر اپ ھر کےا اجنو نكما ,سحاو ريون ہار اس 
کذا رک ضو لی ال علیہ ول داس لے کو كت تھےک ای نس ا کل ری دا کے ما ل 
کے لئ أ ھٹا ہواسے اور بورق انسانيي تکار ایک سے در الا باس سو رل ری[ خر یآیت 
تکفا سك الى بت نکا كرما لطر کیا ے من نے مج نف 
جب قرآن بو کے ب لک رك کون »لیا سب» تالف ا كا جواب اس طرح دب + 


کات ےےے 2 حضو راک ح کی بترتار 52 زمانت 
وا ی سب سے پل تما طر كلام کر نے سے ما ہوکیوئ تن مفروات اى یا تا وت م 
يكام ناج ال یاک رفس سے اور نے ای طرف سے ایا کی چٹ ھی اس 
طرح کلام کر دد کیرک نس صرح جا على ہیں ای ط رع تم بھی عر لى ہو ءاورجومف ردقروف ان کے 
پا میں هدس پا لج ہیں ہاگ یی بند ےکا کلام ےا تم بھی ناکرا اور دا کہ او القلم ب 
واه سے اور جوم کے زر لت سے فر شح کک ہیں دہ اع مضرامی نپھ یداہ ہی سکم اوقد یس 
وکرم سےآپ نو نکی ہیں بل ہآ پکوگنون كم وال خو نون ہیں ل رع کہ ایک سفیر 
زیر ج بكو ی لنرخض خیكکھتا ےت جے اور ین خيا لك 2 ںک ا قش نے ر ںای 
سفي دكا زاو را بسکردیا گنیتکرام 22 يأكعنا على مضاشن پتل ہو ے ٢ا‏ سکوجنون 
کمن وو چون سے اورا یر ر خالا خر من والا ورتقیقت خو ربنون ے۔ 

انآ تون هقی الا سلا ححضرت مول باعل اس طر ررر ست ہیں :شرن 
ور اون علیہ لمكو( العراذ ایند )د لوا نكت ے کو كبتا کرشیطا نک ے جو یک بی کت وم 
سے الیک بوكر الى با كر نے گے میں جنوكو نہیں مان سنا یقن تعال نے اس خیال باط لک دید 
اورا پ کی الل علیہ ول مک اک فرمادی ن جس پر اود کے١‏ سا ل ورم مول جن نكو جر روا مشاہرہ 
کر پاے شاا ال در ےک فصا حت وت اوددانا یکی با فیس خالف وموافق کے دل میس اس قد رت وی 
٣‏ را بد هایس را كبن ود يف د لوگ یکی دی ل یل ؟ 

واش بہت دلوانے مو ہیں ء او رشان می نک زر ے ہیں ہج نکوابتکرا عقوم نے 
دوس دارم تا معطو با تک جوز یرہ طون أوراق یئ کیا ے٢‏ وہ یا لب دبل 
شہادتد يتا ےک وای د يوافو ال »اود یاب والول کے عالات لكل لک رز من وآ سا نک قات 
ے۔ 

أ آي کو(اعی زپاش) نون کے اقب سح پا کر نپ کک وی ركك رکتا ہے جس نگ میں 
9 ست متيل اقا رازم ملحي نكو رز ان سول اور قلوں نے پا کیا ے لکن جس 
رح حارو نے ان کین سك اع ىكارنا مول ب بقاء ددوا مکی هبرب تك اوران بون كي والو کا نام 
ونان اتی و یق یب س ےکم ورای کےذر هس ہو یت ریپ کے ک تیراو رآپ کے 
الک :ون اورعلوم وموار فكو یس ہے رش بكس کے ۔ ایک وتآ كا جب سار دنا 
آ پک کت ودانائ یکی دادد ےگ او رآ پ کال تر ین اسان ہو ےکوطورایک اننا گی كيد سكل 


على خطرات ۳۳ حورا ل ۱ 
2 ۱ 7 

بحلا خدا نور ول »ل ىك فضيلت بر یکوازل ال ال میس اپ شور سے لو لوت یت 
بت کر کا کی کی طافت بض مجنون وت نکی متا نکر اس کے ایک خو رو رم 
جوایباخیال کاس پۂ نے در ہ ےکا جنون ے“۔ (تفی خان س 08 ) 

کم حاضربین! 

ال فت الل دنا می ای ک1 وی بھی یال کے جو ابوتم ل انام لاجر او را قکا ردکارہو کا7 
بہت ہو گے لی كول نض اس حوا ل س ےنیس ل ےگا جوفریکون > مان » شدادم رود یال کل يال 
کادکوی ركنا مو ےکر ا کے کی اس وی کاچ چک دک م کک رسول ال ملاع وم 2 
درکن دبا کیا ای انیم انان نون وگن ؟ نون ياد لوان ےک کیا اس عام ونام 
ع تريش باكر ل ؟ 

يمرا كود ما جات کہ کرب او رمک کے وہ سیگ ر كفا ر جوش ر ت ون کے اخنبار تفت ے 
كنت پھر بھی ز یاد مجنت تے ا نکار رخ را رر بدل د گیا کا نکی خداتدى اوقل ووش ر 
گر فکرنے گے دكا اننم الشان افقلا ب بر پاکرنا مجو نكاكام وکنا سے ؟ا ل انان 
ريون كن وا نے خو ربنون یں بھلاک انان نے روزاول سح وب عا نا ركها سح آخرحیات دہ 
اه «لف ے زره برا کل بنا ءکیا نون ايك ہوتے یں ؟ اہی کر کنو نکہزاخور لے 
ک نان رمات ے۔ 


حضو کسی لیر کشت کے جنروا عات 

تارف العارف می ھا کل سكل موحت ال تھالی نے پرا کے نل اسن ناز 
حضو ر کرم سی علیہ ل کے ساتھ فا و ادرف ایک جھے مس دنا کے تام عق رف 
درو ربج 

واتو را ۱ 

ایک ذه أي لكف تور اکر الى الث علیہ کم کے پا تر يف لا سے او کیت هک اعلام 
بو لکرم عابتا این هش يا رف مت می ان ثرا تصلتون ل ےصرف 7 
وت بول حضور ارم نے فر میا ک وم سات سکیا یں ؟ برض اک یل )١(‏ شراب ها 


على خطبات rir‏ حضو را كر فى نع و مکی ز ات 
(0) نت ز نا یعادت >( ۳) عل چور یکرت ہہوں اور( 0 ) موث بوتا مول -ان يبل ابی عادت 
کویچھوڑ سكا ہوں اگر می راا لام قبول ہے و یں مسلمان بہوجا و لها تحضوراکرم نے فر ءاي کوٹ مت 
ولون صر فمو کی عاد ت موث روء چنا خی راس نے اسلا مقبو لكرليا اوريعوث نہ بو ےکا وعد کیا رات 
کشر بکاشوق ہوان سوبت لكك ككل مت رسول اکرم صلی الوم میں بوتي لكام 
نے شراب گی نیل ؟ 

اکر بل جواب لكبو كال بال تو رسواہوچاٴ لگا سب لوگ نع نکر ل کے او راگ رابو 
نی تورث لا مآ ۓگاء جنا نيال نے شراب يوط دی بچل را سکوزنا کا جش جد حا ليان ری 
ایک کل بج سس سوال ہوجا ےت کیا جواب دوکر اق راركيا نو شرم سے او روش یکا خطرجھی سے 
اواك ان رکرو كا تو مجھوٹ لان مآ ےگا جنا جد ال نے ز نکی جوز ديا _اكى طررح را تكوال نے 
چوری اورژاک ذا ےکا سوچا جن پر وی خا ل آي کہ اقرا رکرو ںگا وشم اور زا خطرو کی 
او اگ وٹ بو لكا کا رکرو لگا جوت نہ ہو ل ےکائیس نے وعد وکیا سج امل ررح لتق 
پر ی خصلتو ںکوچھوڑ دي اور سول اكرم سك اس رات ہو ےک کے كل یارسول ال آپ نے 
اي دیات اکس بكنا وجوت گے - 

وان 

قرش نے جب ببيت ال کی ناتک لک ی توا بات بك نحا لرتجراسو دوين مقا م 
ند رم درد پر ركح »فوت يها لكك كاذ بھھڑنے کے لے تيار 
مولن بلكو نے مصال کی اور ديز مث ككل بع سوم سے میت ال سب سے يله 
قل ہوجاۓ وی فيص لكر ے جنا نيع سوير ےتضوراکرم میت ال دغل موس سوق تآ پکو 
نوت کی نی لتق بكرلوكوس نے خوٹی ےآ پکوقو لكرلياءآب نے ایک چا وروی او راسووکواس 
شش رکھا اور ر یی کے تما ہہرداروں ےفر ہا اک پا درلاايك ای ککونے سے یاو و اورسب اب 
وی ل مق رکرلو سب ۓآ لی الل علیہ ول مکواپناویل مقر رکیا۔آپ نے اپ هس را سود ال رکه 
دی رف راي كته اراس بکا رگن ے اہ سردا کہ سکناک بیشرف ال نے ما لکرلیاہے ال 
ررح ايك ون ھک احضو ر ہک رمس ال علیہ یل مکی ف ہا ت کے ٹیہ سس کی بى مطلب کاش کے 
شل وک ےآ پ دا ےکی ہیں۔ 


سس ل ضور 


۰ 
ز_ ہک ہج ہے ہے کش ہے ۹ سكن حتت ہج تمي 
۰ 


وا لوسرم 
ايك ]د كوا كا بذ وی بہت تج کرجا تھا اس ےک حضو ر ارم کے مرا سے شکا بی کی نر 
اکر کی اللہ عطي وم نے اس كبا کہ ار اگم رکا ساراسسامالن باہرراتے یل رکھدواور ج کول 
سے ولاز ےگا کوک عير ايوق نگ فکرتاے ءال لے جس ےک روز دی ہے امرض 
نے ایبا یکیاء جب چچندآدمیوں نے ل ما سب ن شرو كرد کا لک ڈو یکسا دقع 
0 تلف کر وکا برا سے مب ربالی ال کر 
عا رق بذک بدنا ى ور کی ےء چنا نجروهوابل عل ایا اور رام سے رد 6 - 
واق یم 
دض نے خوت رکی تاور کک کارا رور ارجا مارآ دنا 
کہتام قلا ارت ماہربین اس بطق ہی ںکہ جن ککامرکزىی نت یی پہاڑ یی بتضورا ری ال 
وم نے وبال بے پیک تیراندازمقرر سك ے اورف رايا تیا کے عالت چیک ھی ی ہو ایی ج ےد ب 
يدن بعد یں وه لوأك جب وبال سے زیادہ 2 ہٹ كك لايك دم ککا پا نسہ بد ل گی اور كلمت 
تید یل موی - 
واق بره 
ایک كدق نے ال زمانے مکی دوس ے٦‏ و ی کون ھن ںکیا تھا حضو ر اکر م اورقاتل کے 
درس بذک سل یک ہمقل کے وارت د يتقو كر مس یا متا فک بیان وارث کول بات 
ھی عن مو ضور اکر م نے ات لکواس کے جوا ےکیا او چرخ مایا اگ مد ارت ال تا لک كر ےگا ذیہ 
کی قال بن جات گا »ال وار کو جب ا کا ہے لد ال نے معا کروی لف تقل کے نا جرى الا 
ےر ےن تد ای ل ای کآد یکی جان نکی ا تک للا لک ربا اک تنل 
أو محال ۳ 
ونر 
يآ دل نے ضور كل اذه علي لم سار اپ فاکش کے وق > 
سردوز .ال ےگا لال کچ شک کر لشن حل بذ ى سوارى ما جانا 
او نف یا ہے تو راکم ےر ا کراونٹ اش یکا یل وتا ے۔ 


وات رے 
ایک بوژ گور ت سےتضوراکرم نے فر ا کے جت لورت تس جات ےکی الس نے 
پاک بوذيو لكا ليا ُصور سکول جا یں ی؟ هک هروه رول مول او تک تضور ارم ے 
رماي لماكو ناد وک بوڑھیو كوجواان نا کرد کیا اک -جیکرق رآن میس ےک م نے ا شھایاان 
ور کو ایک اب امن ریا نکوکنوار یال “- 
وا م۸ 
دم شکفاد نے ای تشرط رک اگ رکوئی مان مد يدس ےکآ جائے كفارال 
کوقیدکر سی کے اور اگ كول كاف کہ سے م ی لا جا و مان الکو پا نیس رک کیل کے بل 
وال گج د یں گے ,اس شرط جا مسلران پا تضول حطر تعمرفاروق ”بش رشان اورس ب کنر 
تو ومن فض راوشد لاس »جب دوخودجا تا جلي يشال ىكيابات سے اورکغار کے 
بال سے تارب با ل جود ”> ہوسا کہ وہ چا سول ول چا سب ےکا كوو اب لک یں ؛ جب 
ق ریش ا نکوخود ما کے ہیں نوي يشال کیا بات ارام روان انه حم تن ات 
لك 
بہر حوال الى تل البشركود يو کنا خود دح ہے ءاس درل سے تمل تيم میک سلمان 
ام تسب »یو ان کے رسول کر مکی الث یرومم انمانوں ےد ے ساب روایت می 
ہ ےک تیا م تک علامتوں یل ےیک علامت بي ےک لوگوں ےل گی نکی جات ےکی تلم ہوک 
جاگ دون كس ہیں ودب لوكول ےزیاد ند ہو تے ہیں-۔ 
لز ! "یل پا كا دين سے زیادہ واابست دل کہ کال طور راسیا ب شل مین 
جا بل-اشتعال تس تن بت مر کے اس دارب زلعلیی, 
وم ری تی سم کی صداتك جک 
ل ال کا تھا رل لوث رامات سے اک 
تھا تجاعت جس دہ ایک ق "لول الادراك 


على خطبات ٦‏ حضو رارم ل ال علی ول مکی تس 
ےش چچحج ‏ جج وچ سس تست سس سح ہچ ل ی( 


رصان بک بل سے لك شر تا 
ال کے آ ئن بی لكل جور تا 
ی مرو تھا ال فوت بازو تھا 
سے کل موت کا ژر ا كوضرا کا ڈر تھا 


حدرق ترب > نہ دوات مثا ے 
۰ کو اعلاف سے کیا نت روعا ی ے؟ 


وه زائ میں معزز لك وال ثرآن م وکر 
اور م وار ہوۓے عارك ثرآن ہوکر 


اعادےیث 

عن انس بن مالک اَن رجلا سمل رَسُوْل الله صلی الله عليْهوَسلم ال 
نی خابلک على ردق فا روصت بوأدالاقة قال رول لو ضلی 
الله عليه وَسَلُم وَهَلْ تلد اوبل إل التؤق . (شمائل ترمذى ص" ۱) 

عن خسن قال نٹ عجوي صلی ال یه وسلم ات اسل اله 
اع الله آن دحل لتق ام لان إن اجه ول عجوز افو تكن 
فقال اخسرزها نها لانخله هى عجرز إن الله تغل ی یفزل رانشانهی انا قح 
هُنْ ابُكارًا . (شمائل ترمذی ص" ۱) 


على خطبات ےا حضو راک رمس ای وم اغا 


ےج a‏ ہے سے ےگس گی 


ھی ٢ا‏ رک الال ۱۳۱۷« ۸رودواء ينها مع مھ ماس ردڈکراتی 


موصوع 
حضو راک رم ینعی یلم کے الاق 
ایشا ارم 
وانک لعلی لی عظٔم > 
”اور یتین آپ یڈ ماخلا کے مالک یں“ 
قال عليه السلام ”الْمَابعحْتُ ام مکارم ال لاق“ 
ورف مایا می رے رب نے ال لن باكر شل مکار م لوپ تک دول - 
تفي كالْفِدَآءٌلِمَنْأخلاقَهَفَهِدَتُ 
بانه خر مولود من لشر 
رانا بان مول الا گاید ہی سک دوقامانسانوں سے ال ہیں 
سم 1 ىکلتَلَمسٰبنْرْْعَئب 
بدا وعلمی ان لاتضصلق 
تال نے رسول اش ال علیہ مل مکی عر لپا لکیاہے اور رامقید سكو هیرگ 
بك طرى یکو الا 
فاق این فسی لسن وهی حلي 
سم یس دان وه فسی لے ولا گرم 
ورام تام نیام خلت اوراخلاقی یل سبقت لے گے ہیں اورو ایام دپ کےع موا کے نکر مک 
كرمأ مین 
سور لمك رحس یس رسول اش المع اخلاقي ار طرف رای 
نے اشماروفر ایا ےک آپ بڑے اغلات کے لك إل »ال تعد میں تاکیددر کید موجود سار ید 
کالفظ اس با تک طرف وا اد تاک الا قآپ تالح ہیں اورآ پکواخلاقی ربكم ل کنٹرول 
عسل ہےآپ ہے پیل بج لہا نیا ءکرا مکی بل صفا یھی د ها ےآ پک ذ امت با کات عل موجودگیںہ 


می خطبات ۳۸ حضو رارم ای انت یدانق 
ہ رن ىكل خصوصیت سے الہ تھا ےآ پک وآ راستنفرمایاتھا۔ 
ا یکی طرف ول ن تفس شاد هی سب 5 
مر کون و مکال زبرة زنل و زان 
4 عر خلبراں ش ابار 
تمان کے سارت کالات ایک کے یش ہیں 
را کال می میں میں كر دو عار 
اورسور تلمك اكيت رانک لعل خلت عظيم کف رک ةبس عار 
تیر ریخ یآ لكت - 
”نی اش تتا نے جن ا اغات ومكات ہآ يكو پیدافرمایاکیادیوانوں میں ان الغلا 
وکا تکاتضورکیا جا سا ےہایک دوا ے کے اقوال وافعال میس قتعا نم و تب ہو ی »نا ىكاكلام 
اس کےکاموں تلق ہوتا ہے ال کے برخلا فآ پک زبان رآن سے اورآپ کے اعمال واخلائی 
ت کی ام شی تن هب دای طرف ولت دپ 
فط + دادش دک ولق سح تاج آپ لہا سب یرای طور بآ پک 
نت اورت میت امک وا تع مولس کپ کول دلت اوركول جز عرتاسب اوراعترال ے ايك ان 
اھ رح ےکی الى پ کان اظن اجات ضر تات اک الول اورکینوں کےعن وش کان 
ور“ 
رخف ی غا اس ر زیم اور ربد دبعل وول نون کے مجنو کرد سے بك 
اتا تآ ےکا ( فی خا ۶ ۸٥ے‏ ) 
ال آیت سا كرام نے ایک دف حطر ما کش رسکی الا ے اضرا 
کی ای م کے وھ ماضلا کیا تہ كاذكرة ركان ےکیا ے؟ حطر ما لش رط انعا 
نر( كان خلفه الْقُرْآن )سن ابترا سے ان سے رانا رآ نیک سے ب ال 
ہیں ہق رآن نے شل چرگرپندگا ےتور طبغااس چچڑکوپندراقے تھے ۔اورقر نکر نے ھما 
کنا ین کیا ےآ پ بط ای تدكا لبندفر مات رورم سل ان یبمل مکی عن می رت 
عا تشر اراس یک ربا . ی 


ھی خطبات 2 حضو راک رم کی الوم کے اغلاق 
اک ارا رح سے اورای فآ حا کا ور ے 
گر آسمان کے سر سے مرا سورع بتر سے 
لوگوں کا سوررج وم بمرطورع ہوتاے 
يكن را سوررج عشاء کے بعر لو وتا 
لواصی زیص لسوزاین جنه 
لسن بس سم ال لوب غئنے اند 
(شر ح زرقانی على مواهب لدنیه ج۴۳ص۲۹۰) 
زی لام كر سميليال گر( اسف کے بحاس )ضور اکر صلی 1 علیہ وم کاماہ سيان 71 
سس اتھوں کے ہا ۓ دلو لكوكاث دعق - 
حضو رکم لی الیرم سک مظان وی و ںکہ بی وق تآپ نے لی رق ے 
سا دلوق کے مق کر بای اور وڈنو لكوايك سا نہ یت خوش اسلو ی کے سا -ھ لای رآ نکر مکی 
آیت حالف زائزبالغرزفِ وآغرض عن الْجَاهِلِينَ جب اتکی حور ے حضرت جر 
سے ب بم اکا آی ت کیا مطلب ہے؟حضرت بن نےف رای نیت بكارم خلا ا 
ینآ کم مکارم اغلات عطا ہوۓ ہیں اورده ال‌طرر کہ جوآپ سے ص ژد آپ 
است جوز سل اور جاو یآ روم کے پ ا ںکوعط۔ک اک میں اورا كومعا فک اک إل جوآپ 
ے۔ 6 ل 
ض١‏ یف دم شى 


اچ فیاں ہہ «ارئر لو 


> 
33 ويك 
۲ 


على خطبات ۲۲ حضو راکرس الوم کےاخلاق 
یاک ای وم اخلاق حدسگ چنرواتعات 
مرت عا کش رن ات ف راق ہی آي ےکی کی غلام بائید یکول با را ورن ابقاذات ل 
ىت انا ملیا۔ بال او لاش کے لے ماراہے۔ 
و ےرا ۱ 
حضرت عاش "ید اورصدييث را ہی سک تضوراکرم مس الثم علیہ وم اپناہھتا او رز 
خور حت تھے اوک" یشایع ر کا کیا ات جن طر تم لو گکرتے ہو فرمالی ہیں کتضور نانول 
عم سے ایگ انان ےآ پ اسي دیول یس جو و لکوجلا کی کر تے تھے بر یکا دود اکا لے کے اورک م 
ل ایتا كا مكار دیا تے تاور جب نا زکاوفت ہوجا تافو هرا زک لے ےش ریف نے جاتے۔ 
أوثك: آپ سكم وكير ول عل جوم لل مذ ی ںآ پ صرف اغات حلت کو ں لول ے۔ 
وار 
ححضرت ال فرت ں کش نے ول ہا لی تضو رم ی الیو مکی خرس تک جا 
عر مش جھےابھیتضو راکم ےآ فک کم کہا درگ یفیک یکا مكبو لكي ؟ اور کیو ں لکیا؟ 
و ك٣‏ 
جخرت ال ہی سے ایک دوسرکی ردایت ٹل رش ایک وق حضو راکم کے رارق 
حضوراكرم ایک رن مول جا در یکاجا اتک ایکد بای نھودارہوااوراس نے تضوراکرم لوال در 
کےزرے سے ال زور ےکینی ضور اكرم کے كك یس پا در لكنارول كنشان »رال 
دا سن كبا كما ترس يال تون کال ہے اس مل سے حك دیو ہتضو راک رما لك طرف د له 
کر ضے اور رگم ديا اکا یکوا تھا تیا عط یرد ےد ۔ اک سے ماما ہکا قاب رک روایت میں ےک تضور 
اکم نے الى دیہائی سكب اكه ما تو ال کا ہے دہ شل دیدوںگالی نت نے کے جوکارف نپا ج ب 
ت رات چا کابدلہ شر لو ںگا ۱د یہائی ن كبا لآب بد لال لیا کر کے ہیں پھرتضوسلی ارڈ عل م 
نے دواونٹ سا ما روا گرا كور ےدے۔ 
وال ۳ 
تت٠‏ ا یک ایک رایت شی ےک تضوراکر صلی للم وف نف اد 


على خطبات rr‏ حضو ر اکر مکی ارڈ علیہ لم ےاغلاق 
کین تک اور کر لدع هکت مرل کے وتر ا )کر ے ماله ترب 
جبینه ا کا ین نا کآ لور وا لیا وكيا" 
وتو ره 
رت ای سح ایل اورروایت ےک تور اکم جب رک نماز ے فار و جاے 
توم ی نورم کے غلام اين اپنے بی یں إل کرات اورحضو ر اکر م بطو رت رک ال یس باذ ات » 
بھی بھی پ نے انار سکیا اوقت تفت موی بو توك رپ بھی حضو ارم اللہ علیہ یلم اس 
یش بات هکت تے اورا کار دفر ماتے۔ 
واو ٦‏ 
ححضرت ال سففرماتے نل تضور اكرم يمارك عيادت کے لئ جا کے تے ميت کے 
ننازے که »غلا مکی وکو وتو فا .کتک سوار یکر کے ھے۔ میس نے 
غر وہ خی یی د یھ اکآ پ ای كدت پرسوار تھے جن لك لگا مجورکی جمال سے بی لیس 
لوٹ: ادد س ےکر تان کد ے ہمارے بال كرتو کی طر کی ہوتے ء بل وہ جب بڑے 
ہو نے لاب 
واق۰شٹجرے 
خضرت ال رف ماتے یں کہ سول ال ال علیہ م ج بلک أرق سے مصا نہ فراتے 
2پ ات پات ھکوال کے ام کد چٹ را سے بلمہ اس کے با راو کر کت يبال کک کے خودوہ 
اسن پا ماد یاه کار آپ ان جر افوركوا كنض کل موڑ تے ےکک و وآ دق فود جره 
موڑد بت اور ای امیس می سکھٹنوں اور پیرو لاش دیا یا 
وا ۸ 
ترت بی راہن ربا هفطن ے جب تحضو کرم کسی الوم کے اتی 
دابل دسج تھ تو را سے ید یبا لوگ تو ری الف علي لم كساتجد يدث گے اورآپ سے ال 
انارو كردي يهال کک ہآ پکوای ليل کے درخت سات کیک دیا اور پک چا ورین فی ۔ 
تور ا كرس مو گے اورفريا ل ےکی رک جادد نك دیرو“ كدااكر مرت ای ان درخو ںی 
تار کے میا جاور بو لم شیم رتاو ريرم 7 اورھوٹانہ يا بم روایات 


“ی طا rrr‏ تضورا رم اش علی لم کےاغلاتی 
کنا اب عند يلو ورور پکوروک شی »ویر 
کی با یں از احضو ر اک رم لی علطم امول حل ر سے - 
و تر 
ایک عد یٹ مل ےک ای ےآ وی حضو رارم سے ایک موا مہب وعد کیا كرآب اد رھ 
جج ب ]رامو ںتضوراکرم بی گے اورو ہآ ریا بجو لکیا۔ جب وهآ دی مان دن کے برآ یا تضور 
رم مکی ال علیہ یلم وہیں شیف فراع نے انض فر ايك نے حك بت نیف دی 
میس مین دن سا انارک رر امول وای ی اورت ےک وانک لَعَلى خلق عظیم۔ 
واق مسر | 
نض روایا مت میں ےک تقو اکر راون اتآ زیی الت تك كمسل ارادا 
تاا مول اور وم راشا ل سلسوال راب لیک ر ماک جرا ب دی »کین ممصا کی ار ے 2- 
و اور ۱ 
ایک دراک و ےڑک ےکی رکا پا ايند ریا + لكان من تھا تور رم رل 
بویت ال سے کے یاس کے اورف ایا امیس ماقعل افير“ ٠“‏ ميرخ رن رل 
ين كني :کیا الى قافيراو رتح وا سلكلا م ستتضورا کی خاطروارىكرناجا سے کے - 
وات م۱۳ 
حور رم اللہ علیہ وم ایک مود لڑ کے ےکی عیادت کے لے تشریف سک وال 
حعاات نز یں تا را رم نے فرما کہ اسل ےکم شہادت بوذ اس با پک طرف 
کرٹ سا لابو الام لیات مان لو جنا ال کے پات مورا یک روح وا 
للق ضور مراکم تک مہ سے تاذ لڑ کےکودوز غ سے با 
تن رانک لغلی خلق عظيم) ر سے پیا ےج رآ پ بڑےاظ ا 


٠‏ ولف کرک سب ای کر 
واق نم | 
تل برای داسف ببددق کے ايمان لاس ےکا قصہ یا کیا ےج سك مفيوم اورظا د 


“ی ذطیات rrr‏ 


r‏ حضو رارم سی ارت کلم کے اناو 
ےکہ؛ ایک یی دکی الم س کہ اک یش نے ساق نابول می ی؟ خرالز مان تھا جوش نيان ری 
یں ٠وہ‏ سب تضور اکرم یل مو جو یں کان ایک نثالى كا بکک کے ساب ہوا تھا وہ ےک سات 
کابول بی نا اکچ یآ خر از ما نکی برد با ىآ پک جلد زی پر غالب ےکی ۔ 
چنا چ یش نے الصفم تکومعلو مکرنے کے ل حضو ر کرم مکی اون علیہ وم کے سات لان وین 
کامتاطہقائ مکردیاء لن كود کے كك آسي ]يرن دید یکو ی ےکک کا الا کت با یت یک 
ءاول و دارم کے تتت اچ شل بات شرو کی جوں جل بڑے بڑ ےی بلس می سآ سے 
كك لا كلام می کرت میا بل ككل ےکہا اےعبد ال مطلب کی اولاو !! ال تم ال ول 
لور ی ہو سكت بو پچ ری اٹھا او تضو رکوکر يبان سے پلڑا اوکھو رکھورکرد يلما اور نوی ,خطرت 
ادوس جب د ماه که سابل کے ومن رتضور ےت را معام ل ت بو نویس حول کرد تا 
۱ حضو راک رم نمحر گر سے ما طب ہو کے اورف رما لما ےت کے مورب مناس ب کی تھا ء بک 
کے ال لس ےکہنا یا ہے تھ اکم طود يقر ما سل اور سے یکہنا یا ہے قراس کےت رخ سکواوا 
کرنا ای اب ونم هکت بتع استعال سے اس لے جا ارس ازور زا رات سکودواور 
کال کی دی يمحا مل دس وک ودی نے زور سس لیا امن یا ے وک 
لی خلت عَظِیْماوریٴ گا > ۱ 
دنفیے الْفِتا٤ُلِمَن‏ اخلافے شهدث 
بسانه خر مولرد من انر 
5 ہاں سكسا گمالات ایک کے میں ہیں 
۳ كال 3 2 میں كر دو عار 
چال تذآيكى یر > ای عد تلك 
سلو شرت شم کو نا سے 
وا ۱١ٍ‏ 
ایک دف ہآ سي" سين اصحاب کے ناتسفل جار سے مت کر اماب ےگ وش تکھان ےکی 
واک نيا ہ کی ضور اکر سای اف علیہ یلم ن عم دیا کی تکار فر یراو اک کے بح رآ پ نے مر ہاگ 
لاسي اس کم وراک كرك فع کی کی س كشت بنا کی نے پا میا اک 


ھی خطيات rrr‏ حضو رارم کی ایدم نرق 
نے کان کاذ میا ای دوران بوذت ےل ےآ پگ ناب عمس مده سای 
کھٹااٹھاۓے وس هآ واب تشر یف لا ۓ کاپ نے عر کیا یا سول ال یکا مکی ہم خو رکرو ے 

سكول زت ایی ؟ حضو رال ارڈ علی وسلم ےر ایا انال ایے در 
و رام سے یشار ہے اودوسرو لكك دار ے۔ 

ب رمال یحضوریلی انیم سك افلاقی تے اور بجی مکارم اغلا تھے اوی نی تر نے 
ہیں :"یں چا ی هک هکی‌طرر بان سے اغلا یکا مظاہر :کر تے میں ٠‏ اپنے افعال وکردار ےکی افاق 
کامظاہر ہک بی مضہ ہوکہز بان سے کج ک۲ نشیف رین ہآ رام سک اور ی مگ یٹ با رال 
ییار ےکوچل اکر ركو د يل ديا عات سے بارش شن اور ول اورٹیپ دی رڈ لخو ب کا نامیا کرای 
راب ٹل ژال ديل »یاس ےگل ا زور سےگانے بجا بلك دول كول نی كر کے 
او تک كك نايذه کے اسلا ش ری اغلا کا مطال ہکرت ے مرف تھا گی الا ت2 نگ ول ل 
بھی عوك یں ادعام جا ول می بھی کا ہک کے لے ہو ہیں ئ0 7ت0 
سل بک فا سا رکف سے میا کارز ارس جو جهادكيا دو آپ کے اغلا لاک 
صصق ضور كم کے ها کے منا نی نارای دكي و مسلمان ورک رسک مر 
اکر ما صحا كرام رش ام چھا دک کے راغ کی سکیل خب پا وک وک الامش جار 
اد سے کےافلاق یش سے سبال سرادم رسك .ین ارب این 

1 ن وعه مث 

رانک ری سا «(القلم آیت ۵) 

یس فال حدمت ان لی ال یووم رين فما ل أي 
لالم ضنفت ولا اصَنفت (متفق عليه .مشكوة ص ۵۱۸) 

1211110101020 
اناف کرو ہیں زوا ریمشکو ٩‏ 


و ہے سے ے۔ 


ریب 7 


۲ 2 1 1 1 مر 
مار ا ال ١۱١ھ‏ هار ۱۹۹۵, ھا سد ماس رہ رای 


موضوع 
مورا رم لایر وکا ات کے لے رمت 
تاکز ارم 
$ ومَاازسلنک (لارخنة امین (سورتاني آیت ») 
اور ھم نے رو جوا ہو چہاں سکول کے لے مہ ربالی کے ے کھییا۔ 
عن ابن عمر قال رسول للم إن الل َع رخمشهدا ّت برع فوم 
زخفض اخِرِيْن. ١‏ (ابن كثيرج اص۲۰) 
اج نعمر سے روا يمت ےک تضور اکر صلی او علیہ وم فر ما هک انل تی نے کے رتست بنا کر 
سے نت ایک تو م(مانۓ والوں )کیم دی اوردوسروں (نہ ہے والوں )کی مرو کے سا تا کی _ 
كر مسا إن ! ۱ 
تاد کیرک وار تتا فی نے تما مك مات کے لے رصت اک رگا ہے را کی ےکآ پ تام 
اون لج رضت ہیں خوا و عا م انمان ہو یا عا ن ماعا م لال مو ياعالمحبدانات اعا م چرندو تر 
ا اما لکی ری لپ کے سان دنا يا بن مدال ”لآب یق ت ہا یں کر حضو ر کرم سی 
لی کرام جہانوں کے 2 سط ر ںاو رک انراز سے رمت ہیں ء 
حضو راك رمس اٹ رعلی لمکا انسماوں کے ے رمت بو 
حضو ر اکر کی ال علیہ وم فضان د بالى اودائعاءات خداوندکی کے کے واسطہاورذر بهم ے۔ 
انی ال قاہلیت اورتولیت اسب سے لور ام انیت کے 2 آپ ایک شت ل کامل نکر 
آے 1پ نے علوم کنا نے السا ٹول سا رحد ورانا فی زندگی کے تام يبلوولى را 
ذال انا نکی پاش ےکر ونا تکک اوروفات کے بعد حیا ت کک اورحیات نی ےلیگ رحیات 
جاودال یک وو وا یہلواو روس شج ہے نس سک یآ پ نے پر پور تال دک ×و؟ 
رو معا علا ابن تم کے توا سے سے ال مقام اس ےک ار عام مس بو تک لسر 
تا یکم ناخ کاو جود ہا اور وکل صا مورب ور عیشت ومعاشیاتکاکوئی رخ متا اور 


ضلا ۲۲ تضوراکرم لاله نات کے ری 
لومت چلاے كول ضالط 1 بلک لوگ جاپوروں ءدرندوں اور او ےک لكل رب اب 
دس لكا رتے۔ 1 

افو عأ م کات عل جہا ںکہیں خر بعلائی رآ ہے نوہ وت تکاپ ار ے 
اور چا کل ام ل براق اور ارط رآ ہے یا یغد ہآ ےگ ووت حقہ کےآ ار سك اورک زور 
وک وج سے سے گویا 2 ایک عم سے اروت حا مک روح ہے لبفاز ان نبوت من دورو 
اک اک (روں ا لمال ع٢‏ گ٠٠)‏ 

ب رما لضو ر اکر مکی الل علیہ وک مکی ات با رکات عم انا بی تک پراییت وكاعيالي ورد یی 
وروی 1-3 ے رت نی رمت ے۔ 

مم ملموں كبك رحمت ہونا 

ای مو بذكن شل ایک رم رک سوال پیا وتا ےک عا م انسائبيت میسن فی سل م لفارى 
ہیں ہتضوراکر ان کے کے كي رصت ہیں ؟ ا ںکاجواب ہہ ےک حضو ر اکر م سی الث یرو مکی زات 
كا تك وجہ سے نیز پک عام دعا کی وجہ سے الل تی نے سابقہ فی کم سول کے عا بکی رح 
عام عزاب سے ال امت سك كفا رک و فو کی رکھاے مک ہآسان ےآگ ان هل باب( 
ومو اكاايياطوفان آچاس كدرو ین پرایک کی کافرنہ ده جاسم ؛ع ا ب کااییاسلی کرت 
كذ رت سے مٹ جا بل موتو ف موكيا .> ال اس كفاركود وک مان ے ا یک کی کیک 
اور كرس کا ایک دیع هيران ملا جو يقي تضوراكرم سارت من کاس مور اثفال 
کیا تن ۳۲ او ۳۳م تر جلا حرش )ا ں: 

"ارچ تکفا کے کر اسان اگ مواد ین تيرق طرف س تن ہے ہم رآ مان سپ 
بماد سي كم غاب لا۔ادر ج بتک ان يمل ينا الله ہرگ ان برع اب دک یک اود رن 
بع اب دک ےک جب کک ومع الى .ا 2 رہیں گے 

یرل ل ملام اسف اس ای تک فیرش ١س‏ طر كا ہے :سكين ج مک 
غاري عادت زاب طل بکررے کے جو مکی قوم كااستيصا کرد ے ان بايياءاب گج - 
دیزی مال ہیں أي كتضوركا جود س يتلاك رت سسا امت پرخواوامت وکوت کیو د 
دایب ار عادت معا سل عذا بی ]تا ال ہت لک وتک افرادیا عاد ( 1ے )دہ اس ک 


على خطبات جم ضورا ام سل اش کا ات کے 2 رمت 


ال دوسرے تفر والو ںکی مو جر وا کلم ہو اخ سم" (۳۳۹) 

ال علاومتضور اکر مکی اشعلی 7 _ ملق انات كتقو ق کا رن کیا > اورانسان 
کوانسان پم وزیادٹی سے جوددکاے ال م لبج یآپ نر ون لے کال ال رصت ہیں :پھر 
خصوض ا کفا کے کا جو نکیا ےا نکی بان دمال اور ت وآ برول تفاط تکی جویضماخت د یی هده فار 
کے لے ا لور پیر ایک رصت سے بال وش عراو ت کش اور بضاوت يندس کفار جوخداکی زشین 
پا افو ل او رجدافول کے لك ایک ط رب کے عذاب بط ہو ہوتے ہیں ءان کےخلاف چچہا دک نا نکی 
سک اورا نکی نادت كا مات كرتا کان بيد انان ان سے رمہیں اورآزاداشطور يرد ين اسلام 
کوقو ل کر کے ابد یککامیالی سے تن ہو جا یں بھی حضو راک ر مکی الہ علیہ ول مك موق رم تکاحصہ سے 
کپ نے اپنے ارشادات عالي سگ رای نت يفقت ایک درس کے تو کی مامت مدل 
وانصاف ادر کو عبت( درد یا چنا چا پ نے ف رای لایر حم اه من لاير حم الناس “ 
فیس وگول بر الک ليها ال تھالی اس ریا لک ایک اورحد یث مل از هو ان فی 
رض یَرحَمُکم من فی لسم من زین والول بم ریما مان دا ماعب ربا یک ےکا ۔ 

ایک عد مث نل سبكم كفا ل تک سے دالا بجشت کل مر سے سا تج ہوگا ایک عد بث میں 
ےک رج ضى دوییال مول اوروه ایک رعاییت کے سا تھ برو شك نوو ربنق الك 
یت سي كروص تم سل ج ہار يول پا کے هار باو لك ررد 
کر سے اور مار سل مک م کر ے۔ 

حضو ر اکر مکی ليذ ادلا وكيلة .ال با پکو رھت اورک میا یکا ر نز دیا ال پاپ 
کے جر ور تک لکا د سے د کر« کے برايرقراردياء ال با کپ ادلا بوسر لیم | عمش شفقت 
ورت قر ارو یاء عام انا فوال سكاس يب ل لیف دہ یز حك اس کرت نو ا بک کا مقر اردیا۔ 

ایک زور > مز دور یک وسكت ہو گے ےآ پ نے اس توصل افزالٌ ال اس کے 
اٹھکا بو لیا۔ راودا حم کے تام اسول وقواعد عم وا انم و کے حضو ر کر مکی ار علیہ یلم 
کے رحمة ملعالصینہونے دلا شواہہ ہیں۔ کاس بات اد 
ے ال کک آپ 1 تیر ے ای عدک 


می خطبات ۳۳۸ 201 لا و تشر 


0 تضوراکر لی اوڈ علي ول فرشتو كيل رت 


ایک وف حضو ر اکر صلی ال علیہ لم نے نضرت ا جك مہ رے رقت 
بو ےکا تج كيافا ره ينها ے؟ ال رم تکام کیا ہوا ہے - 
2 يل این نے جاب میں رکه لگ یک رانا ت بای مرکا حت تاج 
دوس رےفرشتوں کے لبق عا مکیا ناکرا تال بوسر ہتضوراکرممسکی ریم ال رن 
کر میں تام فرشتو ںکی صومیت کات زکرہفر مایا ے ان کی اطا عت وکت کے اعلانات فرماۓ ؛ 
بت گل اش نکی اطا عت وديانت ا کے صاحب قم رومنزات بوذ اورا نکی شان ورفع تک اعلا نف میا 
اورت م فرشتو تن با رگاہ خدادتدى قر ارو رف تال سے محب تکام دیا اوران سے عداو توا 
اد راردیا۔ یس بتو ركم ل ا عل لم سس نعلو م ہوا۔ 65> د 
سنوی اون ضلواعلی ضلراایین . 
مصطفی مُا جا ال رخههء تلع المین 


ور اکر مکی اون علبی ول مكاجنات کے لك رصت ہونا 


جنات کے ےکی شر یتو اعد وو این وی ہیں جوانسان کے ے ہی ںاہن احضو لی الل علي یسل جن 
وجات سے انسمانوں کے لے رصت ہیں الى دج بات ےت تآ پ جنات کے لے بھی رصت یں 
مز یھی ورس انسافو ںکو(اس سے کیا کروی لول سے سيكرس )یوت اا ی ے جنات ائ 
نذا کام لیے میس ای طررح تضوراکرممسلی ال علیہ مم کو بر سے ات اکر ےکویمنو عق ارد اکیونک ئل 
ےی جنات فا مده أنهاسة ہیں ء ای طر گر کے سا پل رابا سحي فر ایا سے بیع دا اکال 
مان( کے باس کا کباجاے تاہما پک صورت می كول جن ن ماراہا سے ۔ 


ف زآپ نے جنات ےکی تنازءات کے ین کر کے کرای ے۔ اور ہر وان 
مارا جات کے لئ رعت ے۔ 


هضور ال علیہ مک جانوروں کے لے رحمت ہو 


حضورا رشلل اون ماک می ذات باب کات ا کا کات می جانوروں اورضیوانوں کے ےگا 
ام رت - چنا ہآ پ کلف ہا سے حیات شل جافورول پم ای اورنزرى وت کیا غ > 


بات 5 ۳۳۹ حضو اکر لی رل وم ات کے ّرقت 
ارشمادات فر ما ئۓ میں -] آپ نےسواری کے جاور نت را كران ہےز پان جانورول کے پار ے 
یس مد اکا تو فكرو ج بکک ده دسا لم مول ان دار یاک دور عالت لانروژ و 

ایک دی آي نے فر ما ا ری میوا نکو شن کے لئے نبرمت بناة- 

ایک عد يث مارحا ایا اک مک زندہ جافو كوف دمت بنا ایل اورعد یٹ میس یوان کے ذ0 
کے باد می ںآ حضرت نے فر ما لذ نع يل زياف کر تمر لوقو ب تی زرکھواور جہا لكك زنع ضروری 
ےی راکفا« ایک انث ےآ پ کے سا تا مال کی ات یک جار مکھلاتا سح اور و چم 
نتورف اونث کے ما لك ےنرم کہ اس اون فکوا ھا یا ر وكا کر واو رال !وج نم رکھا 
کرو اف وی ضرورت کے حا فود کے شكا رکم فر مایا جب كان وير ولتقصوو ن ہو بل صر تفر ییا اد با مو- 
ایک یپ دریکھ ا کک سول کے پود بللا لك فالآب نے ال سن راي 

ایک وات یس نے ححضرت مولا ال خان لامورق سے لے کے دوراك سنا جج اکا ایک آدی 

نے تضورسلی ار علیہ ویلم سے ما کیال کے ناشن باس تھے اورایک ناض ن کا دصر اقا 

جک دار تور ارہ علیہ مل مکومعلوم ریک پر یو ںکا دودت اتا ہے بت آي نے ا نف کو 
00 راسو كدودح ا لے وت بک ری کے اتا و لاو لیف نہ يتك ۔ایک کے يرل كما د 
وال مور تکوآپ نے بھی تایاور گی ن۰ کرنے وای “ور تکوآپ نے دوزگی بتايا-الثرتالى کا ان 
حا وَمَااَرْمَلُناک اِلَارَحْمَة لین 


ایک بر نکاوائعہ 


تشن نے چندسا ل لخدام ال لا رثن ھاتھا ا کون لکرر پاہوں وار اشعار 
ل ےمان ا کا غاص یہ ہ ےک ایک شکارگیا نے ایک ہر نکاشکارکیا ر کے سس هه جن 
و رارم ے درخواس کک یر سے چو لے هو نے حك ہی لآب سفا رلک میں اک شاری کے 
سرف اي ول ے لے اورروده پان ےکی اجازت دے کہ یش يول ےل ل کر وال ]جاو لكك 
جنا حور فا رش فر ال اشعار بل - 
۱ ژانتس هس انسسث یف شاف 
ایک بران نے پ سال وفتت د با طلسييگ جب أي لكنوارشكارى نے ا ششک رکیاتھا۔ 


خلا م ٠‏ و زرم یه مات کے رمت 
اا بی الله ای افد 
فد ازضس اعسی | م لحَشْفٍ مُنهزل 
رن فكب ا كرا الد کے میا کےا وقت کے ے مپچٹرواد كلكلا زو ركو وروی 
1 اکروایلآجاؤں۔ 
حلا تمدز رتلز آله 
خس انم ال رضل رعلال مل 
حورن سغار کر کے ا رادا نو بر دوڑ رب یتھی اور رح یھ کر حضور ناتم رل 
میں اور دودکرنے والے پل ۔ 
نم عسادث تسفتساسی السارق سا 
ارما خئث بالا جل 
رن بدا نشان تدم يرو ا كرارق کے ل آل ادروت ہق رر واو نقصان نکیا 


2 85 ۱ 2 الوح 7 4 ۳ ا 7 و 
ار ہے حضو نے فا کر کے ہر ىكم لآزاوکراد اتو و وجل لز ورز ور سے لد 
کااعلا نكرل مول جلك 


حضو رس سر برندول کے رمت مون 

ایک سريب تور اکر م نے دریھاکہ ایک سمالي 72 نے کے جثر جوزو ں لوا در عل 

پیٹ رکھا سے ضور کرم لی اي مهو اکم ديا جم کول چوز وں سكسا تا نکی ما لگا 
یھی موی ی اورداب كيل ہا ریک حور نے سای سے الن جوز ول اورا نکی ماں > ےکا 
سنا او فاکتعا اپ لوق ب چوز و لك ءال سك زياده ربا ہیں ءاس کے إعدآب نے 
دياك جادال برند ےآوان چوزوں کے سات ول 1119 جہاں سے پا سب سل نے پاک ولا 
رس برچوژد با -ال‌طرن شفقت ورصت کے دسر ےکی واقعات ہیں جنس _ سای می ڑنا 
سے وا فور کاپ ہوا عضو رارم نام یالرل کے لئ رعت رصع سے دک 


یف شی نات يك مز 
الاک إِلْارَحْمَة للْعَالْمِيْنَ» 
آخری ا سآ یت ے تلقل ملا مير دع الم یرل طف مس _ 
یر 
ںآ پا ساد جمال کے لئ رت باکر کیچ گے .اک بد بت ال رضت عامہ 
ےتوددی شفع نو را کار ےآ فآ ب مام سح رو اورک یکا فی رط رف بت کول 
ٹس ان او ام درواز ے اورسورارن بتاک ےلوب ا یکی ریگ بول اب ےکم ع لكو یکلام 
یں وکا اور يهال تو رت للع نکاصل نیٹ اس قر رد ےک جو روم مس مستفید موناد پا سب 
ایکا ناك حص ال اقا رجا سب 
چت ونیا لعلو بوت اور یب وانسانييت کے اصو لکی عام اشا عت سح بر لم وکا فا سے اين مزاح 
کے مواق فاحدہ اٹھاتے ہیں نز تال نے وعدہفرمالیا ےک یل امتول کے برظاف ال امت کے 
ارو ںکوعام دحا سل عذاب سےتفوظ رما ےگاء يوضر رم ا علیہ ےلم کے عم 
اظائی کے علاوه یک نرو ں تآپ چہارارۓ ووک اوا 1 کے لئے رارت تھا کول الک 
زرل ے ال رصت کری کی مات مول + کےآپ حال بل نکرآۓ سك ادر ہت سے انر ے جو 
ككل بے سے ہیا گے جے اس سل بل انا حون ںبھی ییا نکی ریغ انی ی سیب 
عدیث کا ترجا ط رح ہے اس ذا تک کے ت میس یرک بان سے يقبي ن کنا کر نان 
کول پاک و کارا رح ا نکو رایت پر لاو لك اکر چا نک گا دوگ نك ره رب نے رتت 
را وی اس وقت تک مو تلد ےاج بتک ا كاد ين الب کل »وبا - (الیریٹ) 
اقا کے ات رآ پ کے رترع وین ہو ےکا مطلب اورزیاد می سآ سکم ہے۔ 
(فیرغنصم) 
وق تضور اکر مس لی ال علیہ مکی لیم رتت وشفتت کدی سال يم جباد نی اورستا ی 
ون ای ما بار رستوں کے جج شرن صرف اک ارا ار ہآ یکا مآئے 2 58 
شش روسوا رسع (۹ هدم ) سیا ہکرام ہیر ہو گے اورسا تسوا تی(۵۹» )کنا ر واک لثم مو اور کل ےہ 
رب پراسلام قا بآ گیا جل جد يد دوك ایک ایک بتك شل _ينقصر لاحو لآدی مارے اس 
تلور ال وم رح ملعا لین ہو سکاف رح یل عطافر | يل آمین 


على ذطرات : rrr‏ حضو ركسل الف علیہ یل کا نا بت کے لے 
۰ سس لس ا ا مر سس 
ن طف اجا 1 رخمه تلالمین 


ول روز ودر بان ٠‏ 


مزا غه واه 
عَنْ عانشة رَضِيَ اه عنهقالث جَاء آغرابی إلى الي صَلّى الله هو 
فا بان الصا ماهم ققالالبی صلَى الله علیہ رَسلَم از ایک تک !د 
رع الم فیک در " (متفق عليه مشکوقص ۳۲۱ 
ماب 7 - مم ي انلس 
َجَعْلَ لکم الازض فعلیهافافضوّاحابّایکم . واه دزد مشكرة ۳۰ - 


على خطرات . rrr‏ 
ے۔ ہیں ہے _ست +٭<× ٭- -: یىی -ے۔- 


سا × تہ ہب ہبہ مہ ہہ ہے ےہ جع ہد سد ہے 


نرے بماد الا و لر اناو اراك بر ۱9۹۵ م ھا مخ سير مس رو ترا 


2 موصيو 
حورا سے طاول اكت 
مار ال رجیم 
ای أؤلى بالمومیین من انفیهم واوا جه أمهَائهُمْ 4 (عورةاتزابآيت*) 
مان دالو ليهات 96( عبت ) ہے ابی جانوں سے زیادواورا ںیئور ا نکی میں ہیں“ 
ال عَلَيْهِ السام لَايُوْمِنُ اخد کم _ ختی اکن أَحَبٌ هن رده وَوَلَدِه رالناس اَجْمعیْن 
حضو راکم نے ف مایا اکت عل سكول نص اس ونیک 
مین بیس موس جب تکرش ال کے بال ان ے 
والد بین واولا داورقنا ملوكول ےز يادوكبوب شن چا ول - 
كترم سا تن !! 
اتال یکی عبادت کے کے رو ری ےک اش تھا یک عحبت وک ول بل بجوست ہوا رکو 
اشک حبت وکتقیرت کے بخیرعباد تكرت هیا میب 
ای ط رح حضو را کر ادڈدعلیہ وس مکی اطاعت کے ےط رو رک ےکور سيكقيرت دحبت 
مو _تضور | ارم علیہ یلم سےعحیت کے اغیرتہاطاعت رسو لکاکول بارس اور نہ سنت نبوق بر لے 
کاگوئی دہ سے اورتہایما نکال ہوسکتا سے قآ نكري نے ای تقيق تكووار ع ليا ےکن یکی ذات 
ملمافوں کے پاں سرافو ںکی چا ول ے زياد وكبوب مساو كوايق جانوں تياده یکی 
زات ےگا واوركبت مول جا ۓ - 
حضور رشلل ای مکی مندرج بالاعد يي سے واس ہوچاتا ےکوالہ ين «اوذاداورايق 
اون ارام ول سحن يوحت حضو رم بون كيل يمان کے سے روری ہے ٠زس‏ ص یٹ 
كمون أل روای تک وجہ سے مر دم كلمو جا اے جس ب ل ححخرتعرفاروقی “نے فر ایک یارسول 
ام آپ ناس والر إن اولاد اورقا م الول ے زیادہ پیارے ہیں من انی بان ے زیادہ 
پیا س س‌طر ہو کے ؟ 
حور نے فر مایا کہ رای ہان سے زیاده پیاران جن جا و تذ يران مل نيس ,پر 


على خطرات rrr‏ حضوا سو کی 
حضو نے عفارو زا طرف تو کی تک پڑنے پر فا رو نے فر مایا کہ دول الثم !اب بل ان 
ےگ زیاد ہآ پ بيار ےہ و گن :اس پتضور ےر ايا" الآن هاگراب تیراایما کا ہلل 
یا 

ان لص رجات ے بے بات دا بوك ہمسلمان لازم اورواجب سب كال کے رل 
ع تضو لی زیر علیہ ول مکی نیم وحبت مو جوايق چان اورا ےۓ ورن اور ڈول یک تا م لول سے 
زیاده ھگ و- 

عام طور بت يا بذ ول سے مول ے يا ال سے ہ لی ے اوريامساوق اور برابروالول ے 
ہونی ےا کک حد مث ل ان ول درجت ومح كرلياكيا .و والده کا اشا رہ یژ وں اور 
با کول کی طرف »اور ولیہ“ ےاشارہ پوو طرف اور والناس اجمعين“ 
ٹیش برابر کےلوک مرادہو کح ہیں۔ ۱ 

علام این رال حب تکونین انوارع رتم کیا ہے(ا) بت جال نلم بجحب والم آن اور 
بزرگو بت ( ۳۲ ) بت شفقت تب اولا رل حبت ( )بت لزت بے میاں ود یک ہت - 

یبال ال عد یی مل ان تو لكو لك طرف انشار کی کرتضورسل رل وم عبت 
ناملس با کر ول چا یئ اور رآ آیت مرج بالا اواج مه “1 
رترت ال ای نع بک اق ات ی "وت لم ]نی تضوراک رم یانرط وم سل اي 
"م اون روما باپ ہیں۔ 

نير 

الآ تك ضير شل طلا م طثالى کھت ول . نكا يمال درا وجود یک روحانی تکرک 
کا ایک هل ہوا ے٢‏ اور جوشفقت وت میت نك طرف طبور يول ے ماں پاپ كياقام 
ول میں ا امو نیس لطا با بك ذر يد سے ال لی نے مدا کی مار حيات عطافر ا 
گی من کبک اور دی حا لن ہے :نک کم مارک ہعدددی اور ش تا فقت وت بیت 
فراتے ہیں جرد اراس بھی ال کرک ای لے برک ای ان وال ترف کا دنا 
یرس فیس ۱ 

مقرت شاه صاحب ی لک کی ناب ہے الت هکاهاپل چان وال مس نا تمر یس جلا 


على خطبات ۳۳۵ ضما رم ےلاو لبت 
تنا ی کا چا ہے اپ جان وق ل ٹیس و الناروائيل اور ار نپ یحم ديد ے توش ے »یطاق 
پر ہوۓ احاد یٹ ٹیل فر ای کم تلاو آ دی موس كيال اجب کف میں ال سکف ديك 
پاپ سے اورس بآ دمیوں یگ الک چان ے کوب ت ہوجا وں۔ (آفی خا نی ۵۵۷) ۱ 
مصوال: عبال پر ايل سوال اتا ے اور و ےآ د ىكبت اولا روالد بن اور یوی ےش اوقت الک 
ہو ہے جديا كر دک دیک چ بین پانے وای عبت فو تضوریلی اللہ علیہ ل مکی حبت سے بذ ےکر موی ے 
وی ورڈ 
جواب: بتک کد و “میں بل -اول :مسق جو ماع اوربعیت مس رجا لكل مدب 
اور جانا کے انی رلک موی ہے ء اف انتا ری مول سب والد نب ولد یوک و غر ہک 
بت نتيا رک ہو جانی ہے ء کیت جوكل بندس کے انقیار میس مول سے اس لئ يكل بح 
بكوكل ایل تا یکس یک لیف الیل دیا در يكبت طافقت بغر کے افقيادت پاہرے 
لبذاعديعث ل ”م عحب تک اک کا طالب لکیاہے۔ 
دوم: بتكل وشرگه ہے ا کا مطلب کہ ایک جن نا هنسب ہے اس کر کاٹس تقاضا 
کرتا ین ش رنج تاق بل کے اباد سے گام ناسب کل ییآ ینس کےا ضه 
كديا عق يح اوررلجت کے تھا ع كو نور كرجا ے اوراس نا چائ کا مهو با سے خلا ایک طرف 
ا؛لا دیا یو كا قا ضا سے :کک ریس وک اورو ی یآ ر ویر et‏ مم ہوتگ راس کے سبحبت سول 
نیت کاتقاضاہ ہک ہے نیس ہولی سل اكرلدلا دكا بات پا موسن 
»کت کال م صن اس ونت ہوا کٹل اورش ربعت او ریت سول کی با کے نب ديد بل ہم 
سے اک عد یٹ ٹڈ لگ سج تکا مطالبہ سے ریس اورشرلعت گرا و کے وتک معلوم مرا ےلگ رکوئی 
كف رانس ونوا شک بات بجلا حبكل اوراگرشر لچ تک بات پا حبت »ياشلا حضو یار 
علي مکاح مآ جا ےک جنب افرش سب اور ویک کیال نکاع مآ کی ]رمت جاک ۶ بان اورحبت 
رسو لکاتقاضا ےک ری ادرال یم رورس پہ عل ,یل رين عقا دش رما جا تا که 
ور سسکا میا سب رمال مد یٹ می بت رش رگ مراد >- 
بت سكم اسباب 
عالماسباب ثحبت ےت اسیاب جو سے ہیں (1)ججنان ( )رال ( )رال 


"ی خطياات هب _ و مات ماد 
صوصل ان علي ومک الو اماد یت 00 علوم بوتا ہے ایک یا 8 
بش رات کے وقت ای کن رچودہو میں کے ها ند يرف الا وراک تو رر نے دیا ضور يار 
سے زیادہخوبصورت تھے ۔ ایک او رسای فرماتے ہی ںکہ می نے جب ودک چرس پات 
اتا خو بصو رت تیاو رک ہورع آپ کے چاو رل دوز ہا ے۔ 
نین کے با می الول سینا ےکا ےکن لاجر اعشاء سک اس بکانام ہے نہک سفيرق 
٠‏ وی وکا لعا ےکش ال ب تضوراكر سمل الوم ورهار کور سے اس سےمتلوم وت کہ 
ہوم علي السلا م يكز ضور كر ميك مت انرا نآ سے ہیں بصر فتضوراکرمم کے اعضاء می سمل تا سب تو 
لا انوں میں سب تخوبصورتتضوراکرم تھے ا لوتر ان نے ا سط رح اداكيا سے سے 
راخسن منک لم ترقط یی 
زان ایک للم تلد ال٤‏ 
مر یہگھوں ساپ سے زیاد خوبصورت گنل دما ادر ہآ پ ے زياده الآ راک 


خاقان لے 
علا یہ بوص ران مایا 
فج وه رال خن یه غیر من فیسم 
ان د مال ںآ پ با ييل رک کوک یس نكا ج مرآ پکوسلا ے دو ناش تیم ے۔ 
ای طرح حطرت عا سك اششعارال سے بيب هكز ر گے ہیں علوم ہوا ا یکا ات لآب 
سب سے زیادہ مین اور ہ رین کے سا تح وحبت ایک فط رک امرے باپ احضو اک ری ول علیہ نم 
افا لوجت اورک بي تاذ الى جتان رھت ہیں۔ 
كب تکادوس راس بپکمال موتا ہے ضور ارم او علیہ سلم سک ےکھا لا کو كول انا نکن کا 
5 ده ال وین دالا خرن میں ہشیش الا این !ما این دوم لين ہیں تام 
انیا وکام تفر کالما تآ پ يل يكبا موجور ے 
#بال سك سارت کالات ایک جه بش ہیں 
i‏ کال کک 2 نہیں 7 رو عار 


سے ۳۹ ۲۳ سس سا 
و رکون ورکان نرہ زنشن و زان 
ار ر یرال شر ایرار 
انتما مكالات کے بح دآ پ سكم بو تک جومال سے مین مکمالا تكوشائل ے جوانا میت 
کے 2 ایام عدایت ےکآ ب کے اک ہدایت ورتم کی مر کی ضرورت تین بک 
ںا جا کته کی ذات کے بحداگرکو یکا کی نل بوک وآ پ مس شع ہوگیا سے :اب 
ما لك كل يكال وگیاے۔ کے د 
مَضَبَالدُهُوْرُرَمَانَبيِئُله 
الى فعجزن عن نظرانه 
زمائےگزرتے گے نکر لعب انا نآلا کے 
اوروہآ و دہز انرا نيرلا نے ے عا وگ 
لا یمکن الشناء كماكان حقه 


بعد از خدابزرگ توئى قصهمختصر 
العو شكال کے میران مس کی حضو راک رم سی ال علی وکا الى تن غا ےکآ پ کیت و 
كبتك تس اسب نوا ل یں سنا وت وعطايا ہیں »ال يمل اکر روعاف عطا وکا مار ہوں 
کون انسافو ںکوآپ نے الث سكم سے پدای تک دول یم سے مالا ما کیا ہے اس سے بڑ تک کیا 
ات بو ؟_ 
ال کے ملاو دیا تک مزا نادت شلك یآ پک تیر لكق ہے۔ 
رت عا كش ری نها هآ پم ان علیہ ول مکی تاو بیرق رآ یھی سے دی 
ح ايض نےآپ سے اپ نے فر مایا ا اورال وادی نل عقت اف اورک یاں ہیں وہ 
سا چیه الوداغ کے مولح بآ پ نے یک سواونٹ لو رقر ,الى ميل کے عرادت کے ہانے ساكل 
ماق بای اوراتنی بد قاو تک رک کل ,ربتکا از« هکرس کے اون کو جوآپ نے شود 
ذف مایاتھا سب ایک دوس رس ےکور حل عل دی رآ کے بحت ت ل ضور يل 201 یبال 
رات ہیں تضورن بھی لا ( نہیں )کج سمل كيا- 
اقل "۷ فسط الافسی تشفده 


على خطبات ۱ ۳۳۸ ضور ہے 
ترلالنهفد نکن لائاتنغم 

اش اس جمال وکال اورنودل سک نظ رتضورسلی ایکا نکر 
عل سب ےزیاد هگب تپ ستاو ۱ 

حضو راكرم اتر ہکا مک حبرت 

یں نے حب تك جيم تال سے بعلا کرام نے شی مک ہے اور تایا ےک سلدانوں سے جس 
متكا حدیث مس تقاض کیا كياج و بت کل بل ہی اوش ری ہے کا نآ ئےادرد کارا 
یت و راکرس صلی اللہ علیہ یلم کے س اتکس فی اورک ی مكرك عل اس سل یس چنرواقا ‏ 
دكايات نٹ كرتا مول کہ يبن کل جا ےک سیا كرا مکی عبت حضو ری اللہ علیہ وم ےی تی 
جو پانے و اسان واقیات کے بعش لك نایک مار بتک مول ما سجخ- 

ححقرت :ورک ری عل فر ست ےک حضو کی اون علی یلم سس کہ کی ابا بارش 
وین الک اب مون چا سجن لوم سم کی درج هالک چا ہے اكت صرف فان والے 
ما دنت 1 

: دودھ يثك وا کل وان دی وا سل ها کی :نو 

كت ہی ںکرایک دف لي کو پت چلاکہان سق ريب جل مل کو نک ربيف كياج لیے 
دود تنا شرو رع كردي_انفاق ت وبال ایک مصوق 2 كربي گیااب پرروز شوم دودح لال 
کرتا ہے اور سیون مون جات سب ایک دفص ليد نے خادم س كب ا لسار دزد هكابيالخال لما 
اوركون کد دک ليك ال بعال عل ترا ين مائلاے :خادم ے جب مول نون 11 
با رو نكا يئام دياف و نون ب يشان موكيا ہکان سورك بعدال ےکی اک ونان دون اک 
ددده بي دالا مان »اورايك خون دی دالا ون »دودح يش وال مجنو لول ہوں کا مون دج 
الا نون طرف فلا درخت کے نويج نادم جب اس کے پا کی رون نكا قراس كز 
اپ اک یل نے مر ےک )کا خن ما لگا ہے؟ چنا چرال نے نم ساكل ف تصوں خون فال ا 
کین رک ليل نے اس ےکا خون ب نكامالل کے بعر لیے هو ل بو نکو وگ دیا۔ 

و مقصر بي کہ ہیس ہم بجو ما ن بت نول ساب كرام یرہ کے چند كلا 


بات ۳۳۹ وا ےلاک ہت 
يج جس سك اندازهموجا كا لعا بكرا مك بت بق . ۱ 

كاي ترا 

عار می ھا ےک حضو ر اکر مکی انل علیہ ول مکی وفات کے بو درت با ۸ دمتوره 
شر جنال لئ جو ديا كرا ب ہو ب نظ مکی ںآر ا سے ساب ہا نکیا ند كذ ارگ ےک کر پ شام 
چ كال عرصہ کے بعدتضورلی اللہ علیہ وی مکوخواب میں وکیا ہضور نے فيا بلال قو کے پل 
یں بعلاو کی طافات ےکک ںآے ہو؟ راب سے دار وجرت يلال دوژ ے ىت 
دوه بع مر يد مور و شریف لالے ٤ھ‏ ینہ ما كرام کے درٹراس تک یک آ زان دی ل كان 
حت پلا ل شی ال عنہ نے اک کیا ,سنن کے اصرار براذان کے ل كر ہو سك ج بآ ان شور 
گی وھ ورو یس یک زلزلہ پا موگیا سی وتو رک زمانہ ادا اوررو سك گے اوھ رحطرت ہلال نے 
جب‌اشهدان سحمداٴالفظزبان هلا ات بے عرش ہوکرز من کہ ارآ ذان د سے کے ىلبق 
عبت کی ۔حضرت ال كاشا مکی طرف چلا جام او رترت الوبكرت اجازت او عدریث سے 
عبت ے کیت ( مکو قڑص۵۸۰) لین اس کے بعدشا م تضوراکر میا رل 5ل مکوخواب مرا 
اور یی ہآنااوراذاع دينا اوادس ول ہوک رک نا یق ماش تارق کے کول طا عاب تکل سے ہے 
ئل سے میں ناک محر یب صا حبك غلیرل وج سے اھا ےاوروضا ح کرد ے۔ 

کا تع 

حضو ر اکر می الف علیہ وم كاجب اتال »وال صدس تک ہکرام برداشت کر کے گر 
فاروق نے وق طور وف تکاا زار کرد یا خضرت عثان ” م 11 وس 7 کے سلام کے جاب سك 
تايل دح »اور عامجا کے ساس رون دنا ری موی »اک عالت عل جب ایک ال نے 
دسا یعضو ری از وس مکی دفا تک خردیدگ جا سے با لک گرد نواس نے 
ا حوس پردوفوں پات رک ھکر ای رع دعا ای »٠س‏ الف در یکا بات شا نآگکھوں ے می ںتفور 
كود بات ما جب حضو رنہ موق كك ذكا کی ضرور تال اے مولا !ری امو رین نے چنا دہ 
ده ہگ 

ات مرس 


ضس نطات 8 ۱ ۳۳۰ توا مس وروی 


ای تاداس ادر رس سامت ہے را ددجا نکی باذى سم 
اعلان اناد سے هدیم ےہا مار ربمم حضو رسکی الاو ا 
کھٹڑے :وک جا مشہادت فو کی اورتضو روآ درل یقت 
نکای تر ۱ 
ای زز اعد جب یدودوم دہشت كبر سيرد ةلكيه 
منورہ سكول بے سا خت می دان اع دک طرف دوڑ یل ال می ایک مان نشم بت ران کین 
داس تک س کہ اک تراغ رایس یی کشو ہرک بات موز روتضور " کی تريتكاتاء 7 
کی سکب اک ترابا پبھی شہید کیا س مفر مان ےگ یکہ یس پاپ کال بوچ ہو برضو H9‏ 
رک ےک باکترا بھائی بھی جک میس شبید ہوگیا وہ پچ ریگ یک حضو حك كعادو جب اس نے نوو 
مور شور رم اون علیہ مر سدق کی کل مُصِیَْو بذک یارسول الله جل“ 
ا الت کے سول ج بآ پت سا مرکا منت وس یگ 
ات مره 
ایک ردایت می لآیا ہے ال نے تام سے دوران وتا سنا كتوصل الل عير یم 
نے لور اھان ن یک وجمان سال سے فريك جا ادرا كام كسك و وو سای نم 
لهج ترادوڑ نے گے ء يد ےتضور نے آد یٹ کر اسے داب رارق رتور 
ناش رداک اور وبتكا ای انتا ننقصودقرا ريب ق اتی _ 
كاي تئ٦‏ 
جنك بدر ٹل می ان ہدرتک ایس املع هک رات تضورنے بل تال 
تا ج اس معلو مکی اب ب س سی ہہ سے ایا کیہ اے الثم کے رسول آي كوتماركا 
ا أوال اورمالوں‌کا مل افقيار حاصل سب پل ندر بیس چگ كل هكلم ديل عم تار 
ما لآ يكابييدكر كاد بال جم نون بہانے کے لئے تيار لآ ”ملل جہاں نے انا یں 
عاض يي سے م بی کچ بو عاضر یں رہز ب بتكا تمتها 
کات سے“ 
م ين “نور یں ایک مزال نے حضو دی الف علیہ وم مکی شان سگمت یکر ے ہوک 


ہن اچس سے 
سو و یں بس ا رك جم عالی نے 
4 پاپ ےکہاکہ یلهد وک "تضور اكرم مخزز اور مارک اور برت میں اور کی > ' ورڈٹل 
دوذ ای نکد اک حضو راو رسلا ن معز زيول او ربل ذل بول جب بج نے ا يوز دیا 
سب محبت کےکر شه بل - 
ات ر۸ 
ایک روات لآيا ےک ”ضور نھگ یکو اکرخون نوا او ربچ ایک موی الوطيي” کود کے 
اک رکیپ شید ہبیش ا کور ادوا نے جا اکرسو تو دی الشرعیہ موز ین کی ےکر او ںکا 
؟ پاک نے دو ون فی لي الور راکرس کیک الْقَيْتُ آخفی مکانه '* كل نے ایک 
رهام ل ف الدب( مكلو "ماش را )ےب بک قبت کےآ مار - 
ایی“ حضو راک رم سی اٹ عل ےلم سے بت عطافرماے _ میں با رب (ٹعالیں 
ورو ل بھی وی قیسں ما يلو بھی وی 
پر کے دشت وجل 22 رم آمو بھی وی 
ق کرل بھی وى 7ن كا ہاوگ وی 
امت ات مل کی وی و کی وی 


کے ڑا کہ سيل على کو پھوڑا ؟ 
تگری پشہ کیا بت نی کو جوز | ؟ 
عشق کو عق ک آغفت ری کو چوڑا؟ 
7 علمان و اوس رل کو پھوڑا؟ 


ال کیہ کی ول عل ولى دكت ہیں 
زز شل بال یئ رک یں 


صمیخظطات rrr‏ سس ارگ 


00 نت رسو ول 1 


11 از رف موخ 
انگ برق را برق را برق را بلق را 


70 14 کے لب و را ديهه ہہ ول كنت 
ھا کہ اب ړل تل 
می را می ر می می را 


على خطبات rrr‏ حضو ارم ےلاو ںک بت 
ر ملعت: 

(101 ےترم ا واول ن ےآپ کے چ ره انور سے تارك بر فی لاب 
(۴)اورشوں ن ےآ پک با قال سے جك می شي ایلیا 
()جی نٹ نے بھی آپ وبا و کا مشاہدہکیاذاں نے و گرا يول کدی ی 
ان کے اک تور ا شن وا لے کیاکی خو بب تر اش کر بنایا د 
(7 )خياط ازل ! سی اللہ تدای نے نهايت خواصورلی کے مات »روج نكاخوشن لبا ںآ پ کے د قا مت 
کو پہنادیاے۔ 
(٥)آپ‏ کی القت اورشن وت میس او شی تر نے اپے داضت قد ہبی آپ نے اپتا عبا ایی سک 
نا - 
(1)1 ھ ینہ جانے وانے ! اکن چائ بے چا رےکاسلام ء رسول عل جر کے ديار شش 


اہ وو 
ور 
حر مث 
م و رز اس لو ھوء رووة طط 6 تو ۔ کو ھ_ ے مه 04 0 
عَنْ انس رضی الله عَنهُ آن رَسُوْل الله صلی الله علیّه رَسَلم قال ثلاث من کن 
یه رجد خلارة یمان أن يكُوْنَ الل رسب ما راما ون یب الْمَرْءِ 
۳9 ۳ ر ےو رر ےھ رورو مگ ر رل راو و ود مہ و 
جه إلا هون يكز أن بو فى لف مره یقت فى الا . 

۱ (مسلم كتاب الايمان) رقم الحديث )٦٦‏ 
ہے راس ۳۹۳ 9 ۳ رز ٹاو فقو سے راو وہ ہے رز 6 او رتو 
وَعن علي بسن ابی طالب رضی الله عَنه قال كان زسول الله صلی الله عليه 

رر کو“ و ور ہہ ًر ما رفور ر 7 7 7 0 کو 
وَسَلْمَ اخب لينا من آمُوَالِنا رارلادناوابانا وامهینا وَمِنَ الْمَاءالبار علی الظما. 
(المواهب ج ۲ ص ۲۸۱) 


صمیخطبات ۱ rrr‏ ۱ داق ار 
جع ہمادی الا ول ۱۳۱۱ ۱,۳۰ کز ۶۱9۹۵ بین جات كد مک دہ کرای 
موضوع 
واف | راء 
سم ابا الرثم 
ل سا اذى آشری بعد لان لْمَسْجدِاْحرَام یاج ای 
ِى بار له نريه من ايا نا( ُوَالسَميّع امبُر (سورئہ بنى اسرائیل) 
3 اک ےدوذات جداسية بن ءکورانوں را کچ کرام ےکچ رل کیا لیر رکا اری 
برکتڑں نے ا كا وكا نيل ا كوايق تددرت کے بو نے وی سے نے والا د 3 
سرت من خیرم ليلا إلى حرم 
كَمَاسَرَى ابر فی داچ من الفلم 
آپ رات کے کھوڑے جے ںہ رتام مور ال تک ارك گے جب چودعو یشب 
کا جا تدان ر رک رات ل چ کک جاجاے 
وبك تسرقی إلى ان لت من 
من قساب قومن للم تذرک وترم 
ارآ پ مرا ع کی داات2 یکرت می کے یہا لک کک رحب قا بتو نكل ہا کے لكا 
اورا ککیا چا طسب اور راراده- ۱ 0 
كمسا ان ! 
حر اسل فی کروی یسل ر 
اوعضو راکم کی علیہ ول مکی زندی نمل اقترا ماما بہت بڈ اوی ے اور يكو تكاك 
٠‏ محتاذورضثال باب ہے لبذايرت سك من ثلا كا ذكرضرورق ے ۔اس وار کے لئ ثرلیت + 
دو الفا استعال کے ہیں ۔ ایک لفغ سرام رات کے وقت راور ررکم 
ادر چپ کایسف دا تکوہواتھا ال ےق رآ نكيم نے اكوا عراء سکاف سپ يكن چک 
0 90 ة9 


یخطبات rra‏ وای اسراء 


ہے جس جس سج ستھے ی mm mm‏ :ہ ہبہ mm mm.‏ 


الک ول میتی مکیاے دو ال خر کک ھر ای تی بیت اتر کا جم اوا ا کا مر ام 
ديا > ااروپال ےا آعافال کے زرا کباب جوک اس رون کن پڑاہواے اور ون 
چ دک ہیں ادر یس بج یآسانوں پر چڑ سے سے تحلق تھااس لئے ال جک حرا کچ میں تم 
اس ول خا قافو ل اشرق يا ندنل ے بج بھی دوفو ں تصو ںکواسراء او یھی مع ار کے نام سے 
دیا ہے ۔ مر اخیال ےک لک اس واقکوددتصوں می نشي مکرووں كود ل_ 

حضورا ارح مکی ال علیہ مکی رای سا لک موی برس سکفار کے باتو ںآ ب نے 
تی منکیفیں برداش تک یں »انان ور پال مثلم کے پا ڈآپ قف گے تے شعب الي 
لالب میس نین سال قیدوہنداورسوکل بائیکاٹ کی صعوبتش برداش کر نے کے بحرا پل انر لے 7 
کاطانف کا ایک سف رتبواال سفر می لآپ کفار ی طرف ے وہ حصاعب ڈہاۓ گے جس کابیان 
کرنادشوار ہے مز مین ب حت والا ا ایک مخرورانیان ٹچ یآخرال مان ےکا مر سات سے ہٹ 
ات ال قاب تی سکم سے توک جاۓ صرف اس ی نی ی لول اوریچوں کے ذر سل 
سے شھر بدرکرنے کے ل ۓےگالیاں دی اورک تين بترا کی کیا خلاصہ يپ لیف کے تام 
كذرك ہوں سے پار ہو گے ےا بآ پک ذات باب کات ال کے لے نباييت مناس ب یک اعم 
ال کین سے راز ونيا زک با نش +وجا يل »راو جب ال زلور بنا ا صو موتا ےگ یکی تام 
ول سے اس تک اردیا اتا ے او تجو ول سے اس پروار کے جات ہیں پھر چاکردہ ایل ز يور ش 
تپ رل موک ت وشرف کے تا معا لک بالكل اط ریت جب طائف سے سر مصاع کی 
ناب اور نا تیان نے غات این ےوک نے سے الک رکیا قاب الترتقال ےآ ب 
کو لیا تا ہآ پکوتمام توس متو اور کولس نوا زدے اوردیا وال کار ے رش ےت 
کلام نیس جا تج ہوا یکا مات نو دای بلا ا وناج بت اه ع ینیل ملا حفر گے - 
۱ دام يرا یک 

طا ف کے ول خاش اوراندو پناک سفرست وال ہو نے کے بعد ا اس ہوک شل را ول 
| مان ماور جب ع ويل ش بگواشتحال نے ای بياد رسو لکوراز ونیاز کے ك عام پا ارم 
اع کی طرف بیداری میں جس صرق که سای اياء ريل امن اور میں ےکآ کارت ام 
لس کرت جلاعي این می نیم کے پا سآ سے م یلپ ليث گے اوسو گے پھر نیل 


على خطيات 5 ۳۳ اق ار, 

اسن اورک لصا السلام نے کر پل جایا زم کے يلآ اس أب كسد پار 
قلب اط نا اورزعزم کے مها كيال سے بایان یرادا ریا ۳ 
پگ يررك كرسي مار ککوی ديا و ریک براق جو چرس ھوٹااو رکد سے سے بقل" 108202 

را ھاکہ جہاں ا کی اہ ید ی وبال ا ںکالدم پ ا رال û‏ بآ کے حضو ر اکر مس لی 
اور ی حضرت جب مکل ام سوار ہو گے ٤ج‏ بآ پکاگز رای تان تسیل 
اترکردورکعدتانفل راز يذ کے بتضور نے جب نماز بسن فر )کیا آ پکومعلو بھی ےر 
آپ ےگس مک مازما؟ جب حضو زی میں جواب دياف بن نے فر ما اکپ نے یڈ مز 
ين منوره ل قاچ جہا لآب جر تکر کےتشریف ملس ءال کے بعد هفوب 
جل سین نے ایک دوسرے متام ی یآ سكسل الیو مکواتر نے اورد وگن یذ تکار هضور 
سل الض علیہ یلم نے جب نماز پگ تج رل امدق نے فر ای لآب نےکوو طورش روک يال 
از »ال کے برش ور ہواحضرت بب رت نے ایک اورعقام ان اورنماز بك عد طاغار, 
کیا آپ نے نبا ید توج رل امداق نے رای كرآب نے مین میس شعيب علیہ السلام کے علائے 
نات ہگ ے پچ رآ پ کاگزرالیک زان پرہواچہاں تل نے ای طر ا كوك تضورے 
كرو ركعت نفل اوا ےرت ج یل اماق فر ای اک ہے میت لحم سے بل رت لیا 


دس 

ا م الشخان سر سآپ سیر مکی وب تفصيل لا درو 

() کر کے ددرا ن راتتے مل ایک بڑھیان ےآ پ ' کو وزو صرت جرح نے ف با کے 
ا لک طرف اتقات شك اس کے بعدرا ست مل لك برعا اھڑا رياس ےک یآ ريسل می 
کو از دی ین رت جرب کات دج ہآ کے عل ,1 للد کے پورححضرت جر 
ریک یچو بوژ کرک بدني اب دنا کت راق دیس بتک 
إن ے اورجو بور جا مر رکز اتی ده شيطان تھا دوفو ں کا مقصر ے تھا کر پلا واز وير فى طرف أل 
کرد 

() ال سف می تضوراک رم لى الہ علیہ و مکاگز ايك الى جماعت پرہواجن سے بشن جح 
ے اوردہ ا رول اد یلیل ر سے تھے تضورنے رکیل اسن ے در یاف تلا کج کون 


على خطبات م٢۲‏ وائے ارام 
لپ نے جواب دیا کر یہ وه لوگ ہیں جوغیب تکر لوكو لک كوش تکھایاکر تے حك ءاورلوكو ںکی 
بر یتر گر یکر سے تے »ای طررح حضو نے ال سفرکے دوران ای کت شود یکاہ نهر 
ترا ہا سے اور یرو کل بت رگا پا ےآپ نے <ضرت رل ام سے در یاف کیا توانبول نے 
کہ اکہ می سودخور »اک طر رح آ تك اكز رھ ای ے لوگوں ہوا ن کے مرو ںکوچھروں سے كلا جار ہاتھا 
او رنه کرو بی ہو جا تے تے اور رشنا ی سل ل جارك تھا رل اسن کے فر ما کے 
فض مان كبوث نے اوراس میں یکر نے وا ےلوگ بل - 
(0) .ا سف ريع سآ پکاگز رایک اسک توم ی موا جوایک ی دن لكاشتكر ے ہیں اورایک ہی 
دن ٹل کاٹ بھی 2 کا نے کے بح دیق يمرو سی بی ہو جا یی جب یط ,تضور صل الیرم 
نے لو اک کالوک ہیں »ضرت جرح نے فر ا اک مال دک راو عل چہادکرنے وا نے لوک ہیں ان 
کی ایک سیسات سو سكو بذ وا هال کے بحدا پک از ركاضؤل اوري رکھا نے وا کول وا 
وولگ تھے جوزلا ول دياك ے تھے۔ 
(۴) ب رآ پ كلذ رايك الى قوم پرہوانشن کے ساس ایک پل میس يكامواكوشت درکھا ہواتھا 
اوردوسرى اڈ ی م کی اورسڑ اواب وا رگوشت پڑاتھا اوران لوگو لك عالت مزا و شت 
کھارے مارا ہیں کیا ر ے حضو ری مرچ یاون لوگ ول ؟ برل اش نے 
جاب ديا كي رآ يكل امت کے وه لوگ ہی ںکہ جوطال یوک یدپوترا مکاری اورذنائ 
جار ے »شنز كا رعردول اور ڑ نا کا رتور ل كمال ے۔ 
(۵( برآ پکاگز ایک الى قوم ب ہوا جنوس نےگکڑ یو کا یں با رسک رامد چاورا کے 
اُٹھان کی طا نیس رت ہیں مین ال کے باو جود پیلک کے لے لآ الم 
ایکا ے؟ جرب نے جواب د موجود ہے ال 
کے هریج چذاديلد.-2 جارج ہیں ءال کے بحآ پکاگز راک اما نك ذل 
یں لو ےک نم كال ری ہی ادج بکٹ با لني يدك طررع م دام ال 
لاور سل جار ےآپ باوج رل امدق نے با کہ ہآ پکی امت کے ووخطیب اوروعظ 
با نک نے وا نے رگ ہیں جودوصرو لو دعر تکیا كرست انان خوداس برل کک کے - 

بسا واقعات ران قال کے مطاب نک اور ميت المقدل کے د رمیا سف عل كب لأس ہیں۔ 


می خطباتں ۳۳۸ دا ا 


ول اقرل ور بیتالمقیں 
کف سرا لزفی داج من انظلم 

آ ال علیہدل رات وس ونت مل رام ےکچ شی یک اه ۳1 
شي در كايا ند اندج ری رات نال يم ککر جا تا هل سف رم ںآ يكاز سق معط ال وقت پا گیل 
کت چپ بمو جب ربل ان سی ر تی کی سرز ین بیت المقدل مل جات »جب ربل امھ نے براق 
وال علق سے بان لیا ال سار سای رام نز اسف ل | پنیا ساد یاں بانددیاکرتے 2 

ال ے بعدتضوراك رس الیرم سير سير فیٰ کے اندر ریف نے کے اوردورکعت 
تخسیت اچرادافراق ریت اذان یذ والے نے اذالن دے دی »اتا مت ہوگئی اور یی 
»ارجام ال س تیر مر تق لش یف ےآ ے ل فرشت بق ول 
س ےآ ۓ سے »سب ال انا رل ےک نما ركوان بڑ ا تکاس میں ضرت رکیل امن 
تو اکرم کی الع وس ويام سی اوراورنماز یڑ عاك کاپ نے ابام ثکرائی قوج لے 
ذا اکآ پ کے تا انیا سے اذ ادافر ای ای کے بح تحضور اکر سی علیہ وک مکی ان انیا کرام 
سے طاقا مويل عفرت ابرا يم ارت کم لام نے ای نبوت اورا فى یی ومتقاماوراله 
تدای کی مس شان میا نکی ,رت اق داور ضرت سلبان ما لام بھی ات کی رفحت شان 
اين ناما م طامرفر مايا ار ا رت تك علیہ لام نے اش کاواس او تال ے 
انعامات واحانات کا کر وکیا رورس نبايت ار انداز ساٹ تحال کت اورال امت ل 
مريت ارام تن کی منقیت ما نك لپت ليام فر را 
ا سپ فضا د کات كذ ريت سم سب قت د گے ہیں۔ 


دوده تراب 
چا کی سے بحسب آپ با ریف لاس7 آ پکودو پا نے ئيش سے کے اک می ردقا 
دوسرے ل شراب ہپ نے شراب ودک پیالہ سک پیا اس پر جر یل ای فرط 
آپ ے دوده سل لطر تكوافتياركياء ارآ پ شرا ب کا پیالہ ےک لي لت پک ام گر 


یات ۳۹ وات إاسراء 
بویا متس دوسری روایا بي »رود شراب »إلى دآ پ نے 
شراب اود پا دو لو ديا اوردود کا پیالہ اقتا رکیا اورپ شہ ھی لي ليا جرک امدق نے راک 
کرشراب اتارک تے رآ پک ام گراہ موجالى دراك إلى لیے 3 آ پک امت غر ہوجاتی اس 
کے رپ کے سفرکادوس معط رد الک ات شور وا لول انشاء ای جم ضكر وي 
ج جم اس سف ري ند اعتراضات کے جوابا کی اعت فرب لت کر بال ےس تآ وراه است سے 
کل ۱ 
داق مارم جندا كت اضات او رایس جوابات 
ترش تم 
وات حرا کو جس اف اور بیرار کات لقنا بلدروحالى ارام خوا بکا سفرتھا۔ 
081۳ 
ار خوا بکاسفرتھا فو ث رآن بجيد نے ا ںکوا تن اہتمام کے سا رکیوں یا نک الوه زات ہر 

عیب اور هگزورکاست ياك بدا تکوس تحص یی اج بن سرام سے سور نض 
55 7 واب یس29 دل ونیا ےکون ےکونے ککاسٹرکرتا ے۔بھی یرو مت ار 
آافول چ عتا اس شش گیب اع رکیاتھا الاش تالی نے اس امتا م سای ؟ طابر کر 
ہیارک یں جسالی سفرتى ام جیب اضر الوم فک م ضحت بمگة “کک 
بر یں ن کہ میں كل »ی روحالی سفرتھا او رخوا بک معاملہ تھا پر 2 کہ سے غاب ی 
کہاں ہو ۓ تھے؟ ہاں الہ حضو ر اکر سمل او علیہ سلم لكي مع ران ہے ہیں ان لت خوالى اسفاركىا 
و میں من آ نکر نے سورع سرام سل معم را کا دک رکا وه يياج رکضری ساسا بيدارى 
رل انی اورافظا 'عس“اں ادا 27 رمل ے وگ کر صرف روں e‏ هاور تسرف بدن 
کک کے ہیںء رورم الپدن بیکبدکوجاے۔ 

اکر اش ر۲: 

“یں جوا سان نظ رآ ربا ےکا موت کہ یوق یآ ان موان ےک صرف ایک ن لول 

ولوپ کے با بذ فلا سفرال کے ان مو ےکا ا گر لا كار يسغ رسيي ل ہوا۔ 


مت سس سس ۹ ار 
جواب: 
یں قرن کریم نے بادبارآ ان کی طرف دی کم ديا ےک ال کی برل 
کو مولغ رستوفوال کے ررح ا اےسثارول او رش تركو يبصو 57 104 کر 50 ار ان 
یں رس جر اک مان لي یں؟: انرا ل کون ہا تمل کہا کے اد اسان 
ہے ا سکیف تبات پاک شو تکیا سے؟ آ کل نو خوداس ماڈرن لیے نسل مكرليا سكأ سان ے 
00 ان با ےکا سوج رے میں ابق ككل ری ےکا کان ہے لس 
اکر 7 
سائنس دان کے ہی ںک ہآ اتول لول تال جاسکتا ےکیوکہ او برطيقة نار یہ اور طبقه زہریر 
ےآ گرم طق هاور بر فکا متاق >- 
av,‏ ۱ 
حب ی اش تھا نے بحا نام ساس دات ارو کیا جس شلوا شاه 
7 کے او ریب وکزوری اوق سے اک ہے دوسری جات رب ےکآ کل دنا ذل نت واۓے 
افو ان طبقات سے نے لت داسپاب بناۓ ہیں یں استحا لكر کے ان طبقات سے لقولان 
ک ےتفوظہوکراویپر جل ہا نے ؟ ںا ار ای ککزورتون‌سازی ا کے النطبقات سے و 201 بک اون ٢‏ 
دا لک اورت در بادشاواپنے شای ہما كوا طبقات ےکی كز ارک ے يتين جواب اشبات یں ے۔ 
اعت اخ شک رم: 
ایک اکت رش جورم زمانے سے چلاآد با ےک مسج دترام سے سد تم یک ایک اکا زج 
اورز ن ےآ مان دتا تک اودو بال ستاو كك موس الو ں کاس ےا تا ہا سر ایک رات س کےہرا؟؟ 
#واس: 
ندم زائ کے فلا سف نصا کر کت سه اورت رک کی جج زی کے مل كول عد با 
یل ے۔ سر رک پچ ادن سج كال ےک یکول کی سرع تر ہوسا ے زی دز رک 
دال‌چزآماست- 
آپ نوك لكآ سے چتدسا لق ل تقو ری یں کرک یک ریا ےا 
سے دور ےا ےکک وال ججاذ سے چندکھنوں مم سف ہوگا لیک نآ رع وہ مشابره نکیا کرس 


على خطبات ۲۵۱ وائے إسراء 
“م شل ابی هک کہا سکاسف تنا ج ز ہے می رے خيال يل ايك نظ ل مین دف نظ رآ بان تلف 
7 آل ہے۔ چن یڈ فرش تآ مان ےا ےک زین پآ تا ےو صاحب محراع کے ل كي مشکل 
تاك تنكول يلل او رآ مان پر چے جا میں جوشا ہی مہما نبھی تے؟ 
عدعث ذل > مور اکم 7 ال علیہ نم کی سواری ”يراق“ کی جبان كام ڑل ۳ وہال‌اں 
کا دم يذ قاری کی شع کو لوسر مک ےک مفٹوں میں دنا سک سکونے ےلو ےکک جا کین 
ل اى طررح گل لواصم شک اگرمشرق سے ال کاب دہاد و و مغرب ما أن 
بجاتا ہے ۔د یلو کے اس لاکی نظام نظ ڈالی كا مغرب ے شرق لكل مرعت ےآ وار 
2 سکوکی وتف موا ےآ اکر رح ت 7کت ادر عت ير کے بی شوابد ہمارے مشابد ے میس ہیں لو ۳ 
ال یس شش کک كبا کاش ےکی دالا وشن ولا ن کے اس مارک فی رقارك جتی 4-1 - 
وال وجو اب ٹل نے اس ے با ےکآ پرا ت کد بین کے اف ر اضات سكوب ہوک راینے 
اسلا اکا کا نار ہیں ال تال ماران تایان پفْراۓ۔آمین یارب العالمين 
نوت: مان ے تخلق بات نصساو مقر لاد تلف جکہوں ب چیا کی جالى ہیں :ینس عل ایک 
کھوڑ اواب یال کےسا تح پر گے و سے ہیں اور لكا رای لک مدا ییا »یسب اسلا مک 
519 وش یں وک لدا نکواس طرر كل تصاد رشا نا تال ے اور دة يرناحا تڑے 
00000 211010111111111 
سب برعت پہن رط رای ا قاح تکوپہن دک ے ہیں ايك عا مش فآ دی کی اسر ماڈرن 
لڑکی بسوارموكرا یصو پاری! ارس از پ رتور اکر مکی ار علیہ وم لق سرب ضور 
کے داش تک باق ے؟ معاذ الله هذابهتان عظیم 
رل سے جات لن ے از لا 
م نس طاقت پراز 7 بھی سے 
نی الال > رت پ أظر رق ے 
ناک سے افھتی س لس ب نظ ھتی سے 
ن ا نت كر و 57 0 الاک هرا 
آان چم کا لا بے اک یر 


باتع سے rar‏ مان 
مارا ےلگا ھا 7۴ 389اء دما رر روہ ری 
موضوع 
وائ ران 
انشا رک ارم 
ولد را َة أ خری عند دة الْمتهی عندها جنة ای یی اسر 
مایغشی مَازاغ الْبَصَرُوَمَاطْفى رای من آیاتِ رَبّهِالكبُرى» (سورنه نجم) 
"اورالاوال نے د یلها ہے ات تے مو ے ایک پاراو؟ رز ی کے يال ءال کے پا آرام 
سے د ےکی جنت سے جب مچھار پا تھا ال بيرق رج مھ بچھار تھا کہ تہ جد سے می اور نی »بتک 
يكال نے اپنے رب یھو نے“ 
رب ترقى إلى ان نلست منزلهة 
ین قساب مین لم تذرک للم تسرم 
اوآ پ ہرانک رات یکرت هل گے يبال ككرتا بتو منک جا + لكا ادراككيا 


چا اتا اور اراده- 
"هرا ص س77 انی یں 
رم مین ۱ 

حضو اکر مکی اللہ علیہ سکم کے ا یم سف کے تلق میں ن کرش جع بھی پھر شک تا 
ران كاو وحص کچ رام سرا یک کے عالات تل تاب پا کی سفرکادو را صہ سج رھ 
اس سے د ری اورال سے پا اتک کےعالات اققات پل ے_ 

کچ رای سے ج بو رارم با بر لیف لال آ ان پر جانے کے كآسان سے ایک 7 
کرت لا کی کی جو زیایت خواصصورت زمرددز ہاور جارات پتل تی ,اس رپ مہ لاگ هك 
درآ مان دایرف عر وع وص حول ايآ کل ز مانے کے مطابی اگ رپ اس منود نا 
یں اش کال جوگی کے ذ ریہ سے چندآرمیو انون مجح زمین ے ونکت 


على خطبات ۵۳ وتوران 


اک تا انز _ 5 


اور وکر اہنس برق رف ری ری کے ذ نيمآ سان کے دروازے پر کم 

ک نکن انیم ےو کو سس فول لت تمو 

مراص ٹیس ابيا ہکرام اجسام شای کے سا تم اط ہو ے ے برآ سان میں جوم یم نی 
ان کے ست ر يل ىحضو رس ما قات ہوگی چنا سل رش لی فك حد یٹ شل جو تیب لاد هال کے 
مطاب او لآ سمان یل ضر آرم علي السلا م دوسرے میں نرت درس میں ترت اوست چو کے 
میں حضرت ادر پا وی محرت پارو چٹ میں حر موی" اوسا نو سان ٹیس تحضر ت ارام 
لی ینا جم السلا م سے ملا ات مول ۔ ا تی ب کویا رک نے کے ےآ پ ””اعياهما امہ یرل اس 
کم می جورف وا سے وت مرف اس یا کے نا ماہلا رف ےک جس نی سے يكل مل قات بول 
مشلا مز ضر آرم علیہ العلا م کے نا مک پل رف ےڈ آسمان اول ٹیش ان سے لاقات مول »یل 
تضوراکرم ج بآ سان اول کے دروازے پر رل ای نے وبال بین حاففافر شت دروازه 
کھو عفر نے کہ اكوان ے؟ یل ام کے فر الاک جرک ل ہھاففف رشن کہ ا کرات لون 
ہیں فر یراتفر 2 نے بو مکی ان کے بلانے کے لئے ييا مکی گیا سے :جرت بب ری نے فرمایا 


ہاںءددہان نے جب درواز ولا سب فرشتول ۓآ كرسلام اسیا لکیا اور آم یگ ppp‏ 11 
آواز یپ و پر مرت رل اما فر اک بیآپ کے ابا ہا ن یتآ ہیں النكوملام حك 
حضو راکم نے جب سلا کیا تو حطر تآدم نے سلامکا جو اب درف ررا” مر حاب الابن الصالح 
والنبى الصالح“ رت رصان درن صا مورآ دور تآ دم نے دعائے رک ۔ 
ضرت 1م کے وال طرف بكو صو ری تل جب اود یت لوٹ اوربك ات ںطرف 
صورتی یں جب اس بر وروت هرت نل ان بای كردا س طرف ال جت 
ہیں اور می طرف ال ووز رخ ہیں ,جنتيو کر رخ ڑل ہوتے ل‌اوردوز بو ںکو کیرک ررونے كس 
ا سآ سان کے امتنقبال والودارع کے بح دآ پ بیج کل ام دسر ےآ سان کے درواز یت 
کین کول یقت عه سے 
ربت ترقى إلى ان نسلست مس 
بسن قس اب ون للم مدرک وم تسم 


على خطبات rar‏ و ران 


اورپ محرا عک رات 7ل کے لے گے یہا کبک رقاب ين تك جا يت كاد ادرا کپ 


چا کا ےاورٹارادہ۔ 


دسر ےآ سان کے ور پان فرشتو حطرت 22 ۳۳ ورواز هکو ل ۓکوکہا وکر 
گنگ وآ سان اول يربو لكك ای ط ررح کا مرکا ہمان شال پرہوا۔ 
N‏ درواز ول رک 


كافظ- آپاون ل ؟ 
ربیل امن - ل جر ہوں 
كافظ- آپ ےہ ات رون ں؟ 


جل امد _- تر سول الثر 
اف - کیان کے بلانے کے لئے پا ما گیا ے؟ 
رخ امنا - 3 
محافطف رش نے درواز وکھو لک رکا مر حبانعم المجى جآء “ مرحپامحامپارگ ارک 
كياق اکآ داسك ہیں ے ۱ 
آنا حرا مارک تیف لا ال 
وثیال‌مناد. ہیں ہب ترس چاخ وال 
کر ”اعياهم"“ سك اصول کے عمط ب دوس رسآ سمان می خط رت السا مت 
طاقات مول رت تفای "سر باب الا خ الصالح والنبى الصالح * مک 
اورا تقال والودار) کے رای ماو لكاي ورتم سانجا نا اعد کے مطا بن رال 
ہوا یاس اصول کے مدان صرت لوف عیام سے ملاتا رت ہوئی ,حضو ری ای 
نے رايا كم سف علیہ الم تن دجما لکا ایک بہت بذ احص عرلا كي گیا سب ءاس کے دز 
اعت چو هآ بان الط رت اوريس علی الام سے قاتا 
ال کے اعد ایا سک مان پا دي سان منرت پارون علیہ السلام سے ملاقات ذلا 
در خزود چیه مان پہگیادہاں' اع کے مان حر موی" علي السام سے تاد 
اوربلاقات کے بحر ینیم مات گے بک اورسا لو آسان یں حضرت ارام علي السلام > 


على خطبات ۳۵۵ وائ حرا 
مح ee‏ و ورور و ورور ہج شس ا 
لا قات مول جو عا یکعبہ مريت اور ے يشت للا ثيك ته :ريل امد س هآ يوبا يآب کے 


دام ہیں ا للم کے _ 
حور سلا یز خضرت ايرام فرام رحبا بالابن الصالح والنبى الصالح “ 
بی صا ادر صا ٹامہارک ہو 


آپ کدی ادح رار کاب يبلا سال مرط ےہ يهال سدرة کی واک ےجنس سےوپہ 
ن کو کد جاجا سے اوراى رح او ہکا بھی ادھ ری کآجاے »ای متام حضور نے خضرت 
تل ای كوا نکی اسل صورت میں ديكصاءاكى مقام رپ نے جو لک سيرك اور رووز رخ كامعاعد 
کیا ہے محاینہ ای 2 کرا كياحلا دنا كالول انان ہہ ع ےک اے بی آپ جنك اورروزرغ گی 
پا تل ماد سا ےکر ے یں کا آپ ےی خودجنت وروز غ ی سے سور ثم شارت ےے 
ور کے سف ركان حصہ نمیا لور ذکرف ایا ے هب ھن وانے دہال دک ھکر پڑت لی سدر؟ اتی 
ستضورنے دبس سئي رات فک رر بھی دک سکیعطر فق رآ ميد نے ا سط رح اشار وكيا 
> وو لْقَدْرَاى من اینات رنه الکبری سی تضورنے اش تھا کاب لد رت کے بڑے 
ےھچ ۱ : 

قاب قَسوَسَُس نم ندرك ركنم 

اورپ را یک راح ىك تے جه گے یہا ںت کک جرا بت ملک جا سنك کا اورا ککیا 
ہا کا ےاورتہارادہ۔ 

ال عقام پآ پ نے کیب ور جب ایی متو را پچ پمعلوم ہواکہ ی کچ 
یں پل کے درخت کے Ir‏ ایک شرا وت 22 )شغول تھا اورال درخت کوچ رول 
اطران ہے الواراأبى اورجليات را ن ےکی ررکھا تھا کاس سے حا نہرگ جار یل جن 
یس سے دوا لف ی نہریس جت م کن ہیں اوددوظا برق نہر دنل در یاۓ عل اورور یاس فرات کے 


وڈ اٹک 
نورا ی كلوقت بش رآ کے بد کیا 


سور نمی جرلا س ےی سل مک اورا کے تال ےآ گے دم دنا سوا ۓےآپ 


على خطيات ۵۱ تن 
کے دوس ر ےکا كش باب سعدق ف اس مك اوا چ اعا رل اک ر کیاے۔ 2 
حضو ر اکر مکی ا علیہ 7 5 
چسون در دوستسی مخلصميااتى 
عسانم ز صحست چسرا تسافسی 
ین جب ت نے بها پیت مرل پیا رای یخی 
جرس ل علي السلا م: 
أكقريك سرموئم برتربرم 
فروغ تجلى بسوزد برم 
تن رای بال راب1 کے بزو ییات ای می سے برو لوجلا كر ركود بلكل - 
اب نورالی جره یئ اورسد البشرة گے بد عت عل سك حضو ر اکر صلی اٹ علیہ مکار 
لامکا کاو غر یس مین كول سوارک سے نہرہبر ہے کل یتارب ذوا يلال کے سيا 
لف لطر فآ ب نے نی رہبری کرد ےنم کے بڑھایاءآپ پرمشتا قانہ تودى طاری اور ۴ 
اکن کے ارم حاضرہونے واس سكول بترو شان لست رل رت 
اہرہونے عاج وه ب کے قلب اهر نامام لامكا او راب سے آوا آل "ادن 
ياخير البريه ادن يااحمد ادن يامحمد “اغا لق سب ترا اما سيك ر بآ با 
چنا نکیل موا ورتضوراكرم نے اوت كاد يبارت ىاليا” بض وع ر نابول عاج 
کہ اش ا ی نے تضوراکرم تسوا كيال جب ای کوب دوم کوب کے اس با للد 
نے جا تا سے لو ےکا کفلابات؟ ضور ۓ دوز اقول موكر بڑھا''العحیات لله ۲ الصلوة والطييات 
نبرک بالات ترت لے اشقال .ففرا ”الالام لیک 
ایهااللبی ورحمة الله وب رکاته “ تم بسا ای ہواورر یں مول اودع ا ہوں تضور ذال 
رق تکوامت کے لك مک ےر |" السلام علیناوعلی عبادالله الصالحین " کہ ماد 
وا نے صا کین دول بر سل ہو ءا ریت جر ام چم مب 7ی 
ان لاله الااللّه واشهد ان محمدا عبده ورسوله “ اس کے بن کیم وراس سيم نه 
وتران راز وناز دہ س ہو ل ن ے عا كان اوراز پان 16 اایں۔ ے 


على خطبات ے۲۵ وائ حرا 
×× ے_۔) ہدسدہ× چھے_٘۔ جہژہهہ۔ ہعہػ۔ تد ہت ہج ہیں بدا 


اد - ست ا ا ت ار کے س ےد 


اکوں كرا وبا کہ مسر زیاغیان 
بل م چ گنت ول چہ شیر و صبا کرو 
7 ا بكس شيعت ےک ان وج کل فكي اكباكل ن ےکیا اور 
باصا كي اكرداراداكيا- 

پراش تا نے فر ہا اک بیس نے تیرکی امت ب يجيا ناف شک ہیں ہتضوراکرم چو 
تجليات ال مقفرق تے اس ے س باتو لكر سل وای تش رليف لائے ء جب خط رت موی سے 
ات بول ريت موا نے لو جما لراش کیام دياس عفر ماي کہا تھالی نے یا ناز فرش 
کی ہیں ریت مو نے فر ا اک شس نے بی اساي كا مایاسے ینزب ہت ذياده ںآ پ پ وال 
کرک کر کھیں۔ چنا حول ال علیہ 1م نوم رجہ گے اور ربا بای ای ایکا ہیں غ یں القه 
تقال نے راي كمي با نما یی بذعت کے لاط سے ہیں نگ رواب کے اناد سے با ل ہیں ء چنا چ ہے 

ی ری حضو راکم وا یک کر نشیف لا سے جیا بتک داز او راتھا۔ 

از رکف راورنضر ا صر ال 

واق هت ارفا ہت أجمالا اورصد ا ره م ول یط كت 

رک جنون سے اب تیاو سک دابا سیگ و هه ےک نے ایک رات 
سید قصق اور یھر سانو ںکی سیرک اورای رات وا لآ ا-صه اس فرمایا کہاگ رشح ہے بات کچ 
ہیں پھر > وكا جب میں نے مہ مان لیا ےکہ چندساعمات می او ہے سے فرشت ا کرو لاک ہے 
و جنرساعات لكر اد جا کیا ید سے برص ديق کڑس کار تضور سے میت 
نیس سامتخلق جنرسوالات کے ا ہکفار گرا مار یچ حضو راک مکی الیو رز 
واب پآ پفرائے صدقت سول الله يآ پ نے 6ذ یاک پا الال ےآ پاوصر ان 
انقب با ےک تقد ان سس كفاركو مين نل ہوااوراٹٰہوں نے خورتضوراكرم سے دور ذكارسوالات 
رن سے اورپ جا سپا سك داف كت یی جر رپ سرت 
ہو ۓکھ کیا كبا ككس اس ےآ سكنت پر یمان مس ؛روایات ل ' "فکربت كربة شدیدة" 
کے الا نآ ہیںء ,لق میں شد ید دبا كاظكارموا-ال بالف تدا نے بيت رل کی کچ کوسا نے 
لاک ایا۔ ا کو خضرت کت جاتے اورجواب دسي جاتے مه ركفا نے اپنے ایک ا کے 


على خطرات ۳ ۳۵۸ الج 
متحلق پچ :تضور_ف فر ایل وع اب کے وقت دہ تافل فلا لم سے ودار موك اورايل ثرا 
ری کا اوآ کے1 کے بوك چاچ ر س نے و دی اس ونم و اب فو 
کاو وسوررح طلورع بموانو دوس ے بادهقاظ بات 

ار کے ال ساد ے داق سے ال برعت ب ایی ددا دبال ےک اش رآ 1 كلا درالم 
رهكياددمرا رواسلامعلیک ایہاا ای میں کلف کا كلام ے اورتضورس ل رل لمات ان 
ای لک رت لا ب کے عاضردناظہون ےکی يرل ے۔ 

بہرعال مسر سكا تمس 3 مساران ہو گے اودبت کنا رک القت مز يدباو 

اتا یئ یق پر حلدك نو فق عطافرمائے۔ 


آمین يارب العالمين 
رآن وعد عث ۱ 
ظرَالنْجُم إِذَا موی .............. ئم نی فتدلی فکان قاب سین اوآڈنی 


خی إلى عبیم مَاوحى مَاكََبَ اود مازای امه على مایری ولذ رات 
أخرى ع:سدَرة الَمنتهی 6 (سورةالنجم) 
قال هقی سول الله صَلّى الله عليه سم له شی بل ء قح 
من خضرولن قظر البهما فان ال جبریل اْحَمدلل لَذِىُ مَداک لِلْفطرَا 
راخذت الْحَمْرَعْوَتْ امک (بخاری کناب الفسیرسورة بنی اسرائیل) 
الحمد لله کبک با جواٹھار وم وضو ات مل کل ہوا 
اب ا کے بعد ور احض ملا حرف ,ا بل 
صاز رامت ركه ر ر گے 
ابا ىہ گزر جع رب ٤‏ 


على خطبات 2 واقومحرارن 
مم الارن ام 
ححصه دوم 
عی عال 

مرک مقار می نکر م ! آي لہ علوم مرک لراش سل نرم اچ زک تقرس کے 
نام سے ایک وع ہپ کے سان یی کیا تھا ال سے میا متقصر ایک فون تھا کہ می انی طول 
گت کاو نی تو کول لكا حك ايك رص سے ا ظا رت اک کم ازم داشت بک ریا" اصول 
کے کت اوقت ضرورت میں خود ال کاش سے فا ترم ا سكول دوسا مقصید ی تا کے ای الى دور 
ل زماندنے سل تی رفا دک سے رقا رش روك ہے اورال نے ہرصاخ یلم ول نوا نک جو 
ال ھا رکھا ے اور نے فرصت اوقا کو ورج عنقا نک بدا اورشل نے ہریز سے ست 
کے اورخلاصہ ونچوڑ يك نے پر انا و لكوججوركيا ے اورشس نے جا تلت اوقا تکوٹحتی 1 
يبابناد .ا اور نے انا كو جرتيز ے تز رفا راخ بناديا ‏ اور نے تضرورت ابچادکی 
مال > 2 قاعره ایا دکیاے اورت کیو م سے وق کم او رکا مز دما فا اا تو لكو 
دکھادیا ے او ربل نے ”کم خر مع بشن "مسق ماد اك سئي لطر نے اچ 
احباب کے سا ۓ تيار اور بی ينال چت رتا رے رکعدکی ہیں جوت لش کی ج یت کت ہیں ج سکو میس نے 
ایک وضور کے چت متولقہ اکٹ مواد ےت ل1 سمان تہ برس ےک یکو کی ہے حص اول کے 
رهم روم ام ىقش او ل کاش ووم ے بتوانشاء اث قش فقث عالى بت رکش اڑل“ کا حصران بے 
ک-بال امن ا کاک راف سكب می ج دكنزور يال ہیں وه يقيياً ان متروضات یل 
موی ین ااب ام ےکفووورگز رك اسندعا سبد 

"والعفوعند کرام الناس مأمول“ 

خا وخطیب وخطابت کے تلق حم اول یس جو بر ضكر ڑکا مول ا سے رگا-2 بای 
ٹل اپنے دل مل میسو جنا ہو لکش نے يقري ب یکی ےکر احباب کے سا سے لكر کے اطا او رام 
کے اصو ل کی خلاف ورزی کی س ےکیوکہ ان کے بال طب کے ناس ناص ئ با تکس یکو جانا 
ھا كلصنا سي او شلم کے متراوف ہے باک اک طررع بے میں مر كترء ےک اوركنا م وجود 
کے مزا نکی ,لش نے اپ ذات پر ابا كوت يدس كران تا نوا 


کات نم ےل 
دعا كرحا ہو کرو ال من تورف قب لیت عطا فرماۓ اورا سے مقبول خا ی وعا م ہنا ئۓ _ 
آمین یا رب العلمین 
شیارا رفن علی الازض جوعة 
وللازض سن كس السکسرام نشب 
مار رامت رگ تہ 
20 ره كزر بل دب 3 
کول ان رگ اۓ د اه 
یرون 6 لاب ہت ری كا 


الد لضي نأض ليرب ورٹر بوسف زل 
استا دجامعة اتوم الا سلا می ورک ناد نكرايق »نوم را ۶19 
أوك: 2 
اب یتر ے یں“ ے اندازے' کی خطبات کے نام ےم واضافہ کے ماقرا كا 
لدي لكا بك صورت م لكبو رک پاری سے ۔ 
فض عر پسفزل 


۵ ری ۶۵ء 


ات ۱ ۱ ۳ اسلام سل طبار تکامقام 
معا ماگ امال الام ٭اؤبر ۱۹۹۵ مد ينها مع هر یٹس روز کرای 
موضوع 
اعلام سل طبار تکامقام 
دا 


ان يُتطهّروًا YOO‏ (سورة لو ۰۸) 
"اوه رک فیاد يك دن سے ب ہی زكارى برك كل سے وو لاان کر ام کی ڑ اموا ی تلا 
لوگ ول جديا اک راودو ست ر کھت ہیں اور تال پاک ر والو لكودوست رکتا ج 
وقال عليه السلام "هر شَطُرُ امان“ 
حضو راکرس مکی الیرم نے فر ایا زگ نضف یمان ہے۔ 
كمسا دزن !ا 
ال سے لے اسلام لا زک متام "تخل قاش جع کوب ضكر چا مول )ا بآپ کے 
سا نے نے لام می طہار تکامقا عم تابتع كرو لک - 
اسلام یس چون نازاب مهادت ے جو اکٹ علا »ناويك ایمان کے بعدسب سے اقل 
كل ايان اسلا کا مزا با یگ ارت ہے ال لے ہرعبادت سے ييه اسلام پا زگ 
اور ہار تکام دیاےء چنا تما کی ای رطہارت سك جائ تل ہے بک فتہاء نےکھا ےک اک کوکش 
قم راو راخ وضو نماز ثح كك ےا اال کے کار ہو نک خطره نماز سے يبل وضولرنا فر سے 
الرول كنل مور ےاورضو قاری 22 2 سے جوطہار تک ایک 7 سب 
ول سب سے لآو یکو تی عونا ب تس کنو كم جف کے سا تھسا تج اس 
تلبت یردپ یوم کي اتا ل کی چ یا کل مكيل هگم که 
: نس سے رہ جل ہکا خطرہ پیراہویازادوٹھٹرانہ ہو جوفقصاان نيا يا یزاب وره نم رک سے 
كيس اور جبرو جل جاۓ ۔ جب وشار نے وا سك نے بجا ن لاک بل استعال پا هرود 
1 ےط رمو کے 


صی خطبات نلك کم 

مزال ول شربت :شور ہہ وغیرہ نہ وت وف وک یکر نے سے جب ہی کیب از 
وض وکر نے والا ا کو اک میں الا > كيل ہے پل سرا توا ہو بد !ودا رنہ مو جب بی سب مرائل ےے 
ہوجاتے میں نوعلم ہوتا كراب چره وچ ودک نکی ایک اد سے دسر ےکا نکی لونک اور نز 
ےتھوڑ یک تین پا رولیت سبدو سيت پا كاكلا یکین پا تسه اود رگ بلح 
ے كيت لدت شا مره باصره سام ذا تون ره سب الا 322 اورک پادشاه ہے را یلوین 
می ڈبون من سب علوم ہیں بمو كا ال کے لے صرف تر پت بورع کا ایا ری رس فار 
ہوک موک نے وال کل وتو سے کنو ں یتک لور يال رورش نش ول ہوجا تا ساي 
2 ال تال وکیا لايخ رب کے سا ےکیٹراہوکررازوناز می شغول وجا علض 
اعضا 2 وشو ایک خن برايري تھی ارگ رہ عاسو فوس مواق وج ےکک اگوی 
کو ہلا ناڑا سے کورقال یامردوں کے اعضا سے وضو اياك اور پاش نہ ہویش کی تم تمق ہواو رس۷ 
مک اکھج واو رج وك ميا جا سنا ہوا كم کے رون اود يلش شکوج بتک اعحضاۓ وضوموت اورک ور 
سے ایا گیا نو وضو وااور دنا زہوئی_ 7 گی اورہارت کے 21 يصو روص رف اسلا گنه 
قرام عام کے دی نراہب میس ا لورت دوس رے لوگ صفائی سل رہارت ارگ[ 
ان کے بالل اسلام نے طبارت بر ودديا > اورفر ايك اکن گی نصف ایمان سے کیرک مم مال 
بھی نی یکن صفائی شس پاک رتش مولي شلا ی ےس عر لبا ی نوا چون کوٹ ج 
ای اھ کی ٹاک یھی جاور جر طور ميد وخوشمبویی استعا لگ چیا سب دہ پا لکل ف ریش سے رود جنابت مم 
ہے با خر وضو کے ہے یال کے مم پراندد سے یناب کے دعب گے مو ہیں يا كيرول شراب ] 
يشاب اہو اہ یہاں صفال ت ےکر پا کر گیائیں ہے ریف ات بل سک سر مسا کرازبا ھا 
تلا تكس ا ”يق تا کے کے بحآ پ ےک لک( جو کھت ہی لک فا نمف ايمان سب > 
هو اور ےی لککھاجا ناش ربعت نے پا کر کف ایما کہا سے سنا يكبا ری بل منال 
اع کے یں ادن دزی ےی مھ از سنال را 
ین صفائی مل پک ریش ہوک ال سے ش ريدت نے هار کلف وا لیماف 
كات ليا اس اورمد ب کا ی صرف نھاہرکی صفائی وت مودناک اور دنا خی سلمف 
یمان یش چم سحن ياددآ گے ہو سك یو مھا برق طور دوک وصفائی اص لكر لبت ل - 


“ی خطبات ۲۰۳ الام شل طہار کا مھا م 
خلاص كلام ب ہ ےک ایک رما كا نظام ہے اورايك شیطا نكا نظام ہے رحمان کے نظا م شل 
رشعب بللہ پرخوشہ يل LAS‏ رک گیا ہے رمان بیوں قالا ہے اورخ یو ںکوپندفر ا ے 
-اورشيطا نگندہ > لل لے وه ب رگد یکو پر رن کلک م دیا وضوکا عم ربا ے 
۳ اور شايع سے نيت کا 1 دی خو کول ارو شرا مکش ورام قاروا سے مات بل 
حور جنایت لپ عباد تور فا رد یا ے تلاو تون کیا ےکور ‌دال ہونے حروكا ای 
رع کدی جل مل ناو ردیر پارات سے د وکا سے ار« لا ل جنر نذوم مقبول ۳۵ رد یا سے ما 
او کےگوش تاوا را رد یاک شی فلي ورج عادات ہو لک کل بیج ما انان مل نہ 
وال ادلی هتفر سبك ا گوشت راقرا رد اکیلم 
س لح عردارگوشت سی رل سے جس كترى عفت رامول سے کیبور عثايم ے 
رکا کم ز 1 1 مرن نکم دی ےکک ے 
تار ےکنا نرک رد يل بح پات کو ہر مک كنك سے ماس هکم دی ہے ہام کے لئ با میں انس 
کیا پھر با بل باس تناکا ےو کیا یو یرگ یس ا قیال موتا ہے پر تایه سے 
کیا كد ےدک بیز سے بک مال کے پیٹ یس سكاعلا جدتله ما ہوار یکا خرن ہہوتا ہے تو د ہا لبج 
شتا نے ناف کے ایک نا لاو رتم کے ذر لت سے عدا ناس کا طا مخ مایا سے کہا انا نک 
م انوا کی پاش کے بح اکل هساک نا لیا موك الا و حك فى موک ا کے 
من كوو را لگ گفون مایا ناي رما کا ظا ہے جم سک طرف وہاۓ بترو لكو بلاج ہے چو اک یمور 
شهار تكانظام عل هت شق معنول میں صفائی امل وہای ہے۔ 
رن کے بتكل شیطان کے فام یس ند ہے جہاں جہا نکندگی ہے دبال دبال شيطان خو 
تس لی رین شس یوش ٢وا‏ ےاوڈ اغا نے يل فل بناج نر غانے کے نون مل خوش »وت ہے مراب 
اس اچندوانے الہ انے لم غا کے اورا نے شلف د متسه پاک پچ کے جا نا پاک پچ کاعم 
دتا ےگا نان کے شراب پٹ سے خی وج Fe‏ رو 0 کک اوش تکها 2 گے مر شی ہاور رھ 
وم کو ےا ور ل کوش تکھا ے فا نخس ا شیاء کے استعال سے نيا نک بد نرق »ول ے۔ 
عا مان اکر زات وی گر كذ ے غالک جا لو شیطا ناک ی قاع تل 
21 یک ول بات 7 ئل ےکک یادہ روا ماوقا و1 ولا اب 


ظا سی بتر 
خوشاں منج ے »با بل قمع كول ملا نکھانا کچ ادددا یں ہا کے سے ياغاد ماز 
کر ےت رخوشیاں متا سے ۔ملمان سكم ب جبشاب کے پیت يذجا بیس یازیادہ دم کک رن 
جنابت کے ساتھ رہ ہا سے أو شطان و سبال ا ا سے عرد ا ركلاها ہے او رمیا یلا نا تا ے مرل 
راستوں کے با ےرا مس راستوں میس لگا تا سے رن اکر واتا ے اغلام پا زی اورلواطت میس اک رای 
اورپ تا ےک انال نترك میں ریگ فا كلجا جنر ىكس چ 

غلا كلام يد س ےک دتما نكا نظام يا یگ اورشیطا نكا نظا مكرك پتل نو ملا نکر 
مات ہک ووا سيمل شع حیات شل طبارت کے نظا مکوا ینا -2. عدیث یل سب ہک بر مان يان 
كدو بغت شل ایک دفو ضر ور سل ے. ایک عد یٹ ل کہ مان يد لازم ےک وہ بقع 
دن تس کر لسر ںآ کے اگ تل يا خطرعبيا موتو وه استعا لكر ك1 .ایک عدييث شل ےک 
ملا نكو جع کے دن کے لے خاض لبا ی دکھنا ياج جونت اورمشقت والالباءل نہ .اسلام طبارت 
اور ری وال ےم ديا کھانے سے بط باه وواو» يأك اور صاف بر دل سیر ے 
ماد سا ندا سےکھا نا کھا ادر برت نکوخوب چا کر صا فک رلو اور رت وولو اور او رسوا کر کے 
توب صفالى اص لکرلوء يال اگ رر کے مول توا سكاخيال رکھا رتیل وی کرو چنا طبارت اور 
ای کی کے > ق رن ود یث مل بہت ز یا دہ اکا مات موجودہیں اک سیل میق رآ نکر کم سجدباہ 
کے لواو ںکی تال ردي فک ہے اور ای ہار تكو فر بای اردص فو ںکو انی غيب دكا 
ارشاد باق تھا یکا ج اسر ے. 

"لبد ده ل دپ دن سے پیز رک کل کت اک کشت 
الا میں جد باك رہپود وست رک لا رارقا ياك ر بے والو ںکودوست رکتاے 

سيرعال: ورالصررا يتك ای ریس امس ارت اسر ح ألمت ہیں: 

ب کے لاکن هس ےکی ياد اول دن سےققری اور یریم ہو 
از یکنا ہو ںاد ترارق ل لود مركم كانه ستول سے اپنا اہر بان يال وصاف رکا اہتا کر 
زی اال سے اس پاک وب طاسب .عد یٹ شل يتل از من ات 
درفت ف ما اکم ييز كايا فاص اما مکرتے ہو جو تحال تا رتش رک برع الب 
کہ اک ڈ لے کے بعد یا ے اسیا کر سے ہش عامطہارت نار وی کے ملد ولگ 


۳ سس ۳۹۵ اسلام دل طمار تک مقا م 
جك متاو سعز امامتها مكر ے ہیں۔ (تفر تشه ے) 
ایک عد یٹ ب ل تضو را رم سل اللہ علیہ یلم نے فر ما امو اک مرک يكت كل اوررضا سے ای 
زیچ اسلام نے منرصا کر نے اود پاک رک ےکی بک حاكيرفر ال ہے اکچ پیا ہکن دغیرہ 
کےکھانے کے بعد الام نے لمانو لم دک جن بک کک م شل بد هو جوو ہو رض مهن کوک 
اس سح فرشتو ل اورانمان دونو وليف یپ نی ہے ای يقي كسك دوس رک بد بودارا شیا ہشلاسکر یٹ ٠‏ 
کی وار وء پان وظیره ان اشياء کے استھال سے اکر مد بد بودار ہو چا جا ےپ ج بتک پر بولودورث 
كياجاس ال جانا در عام نو سے تل چول رگا نا سب کل چا رح ش ريدت نے 
نا یکی عرض سے خلال استعالك. سکم ےک اگرداضوں کے درمیان بون ديك ہا ر ہت يدبو 
ا حدق ے یز ادانزل کے درمیان خلا کر کا مم موا لہ 7 صل ہو اروام 2 
ہ+وچا تل بابد ودار موی كل اياده زیاددسوا کک ےکم دیا چ بیسب پیز را ہیں 
ل رصان پت کرجا سے اداو کو چا سپ ےکرجمان کے يند يوط لقو ںکواپنانے کی بكرو روش 
کي تالم پاک «صاف باس هآ من يارب کین 0 
آگ مین ڑائی میں ار وت از 
قل رو ہو کے زین ہیں مول توم از 
ایک ی‌صف مم سکھڑے موك ور و ایاز 
7 کول لدم را اور نہ کول ره واز 
ے بندہ و صاحب وتات و كن ایک ہے 
ری سار شس بن نمی ایک بو 
رآ وعد یٹ 
#يايهالذين امنوااذاقمتم الى الصلوة فاغسلوا و جوهکم وایدیکم الى المرافق 
وامسحوابرؤسكم وارجلكم الى الكعبين وان كنتم جنبافاطهر وا .(سورة المانده) 
عن ابی هريرة يرفعه قال لولاان اشق على امتى لأمرتهم بتاخیر العشاء وبالسواک 
عند كل صلوة. (سنن اہی داؤد کتاب الطهارة باب السواک ص8 ج١)‏ 


على خطرات ۲۹۹ سلا حل نما كام 
ججعة مارگ الا ٣وہ‏ ر۹8۵ء ددجا دلرو ذلاب 
موضوع 
اسلام یل نما کا مقام 
شارت ارم 

قال الله تعالی ومر فک بالصلوة طبر ليها لانسالک روف 
رفک وی رطه ۱۳۳) 

”اورا والو ںکوفما کت مکرواورخو وى ان رام ۸ دس روز ی کل اگ یں 

بک )تادرو زک د سے نيل او ام پر ہی زگاریکاے“ 
قال عليه السلام "وه ماد الین“ 
وه الوم ای اکنا زور نكاستوان ے۔ 

5300 

ال تھا نے انا ن اہی عبات سک پیراکیا ہے اورسارى کا با تكو انا نکی رمت 
ملا یا انا تال نے رز د کاوعد وكيا اورانسا روز کی نے پ٤‏ یدیا کین 
دزی دگل ز پلالن ےکی سارک فد ز مس کا ہے اودرانسا ناوا نی عبادت وطا ع تکا اب 
ج بات شا زیت سب سے انل عبادت ناز اکر پا 
چا احا مش اہ پسب سے ف لكل قارو ے 9 : عا ماس ےکوی اعبار سنا ول 

زار ديا ای وجح تا مآ سا یکمابوں ل نازا م کل ہار ہا ے تخراد اوراوقات می 

چ قد کالب غمازے تشر 

تسش سر ایر سیر 
هايس اب دس کوئی فرت جس م نامک 
وج ےکیٹ رآ نونج ےس اک کا مآیا اتی نارتقا 
ینان 7 دیاوف خدااورا یرک ملام تقر ارر اسب 

ان الا هکنیا بے اي روت 


على خطبات ۳۹ اعلام نما زکامقام 
تر ارد هدك »مشكلات ک ےل یل ہما زوبطو رویز تر ارد يا ما زکوسلمانوں کے پھاکی چا ہاو رآ یکا رش 
قر ارديا نما دوف ارات سے باز رسكل وای بتایا ا بلص مو کاشیو قر انز منرت 
اراك پر داوم کی ببستت كيد فر دا ورزر وا ےکوش ران کے ساتھ جوڑ ديا از سے نال 
رۓ وا ےکودوز مغ گی بددعادی ہے اورنما زتچھوڑ نے ووو زر میس دافل موس كاسي ب قراردیا ے۔ 
اش ت رآ ن تیم نے نما زویف شیم مقا م عطاكيا سے لیم تام عبادات پر ہمت زیت کی 
ما ےک با فراش تو زین بر 1 ہوۓ جب فر وی فبا زتضوراکر لی اللہ علیہ ہک یفنم 
اقا لآ فال کے او ب براه راست خود اٹہ تا نے شبح رارج یں بطو رک عطافر مایا اورتضورا گرم 
سل لير مکی داش انی ات ےتا طب ہوک رآ غر یکر کی زا ےتا ترات ”الصلوة وما 
ملكت ایمانکم" فا زگلازم يكز واور ولمم کرو 
از يت 
اعادبیث ماک شس نما زی بہت سا ری يليش وارد ہیں سارك ع شی ںا زک رکر كن ہے تا ہم س چر 
اعادی کات جم ل/ناچاتاہوں- 
حطرت الو پر کی ایک روات ٹل ےک حضو راک م سی شرع یلم نے فر كم 3 7 

از اورایک بقع دورے جم تک اورایک رمضان دوسرے فان تک یا مال 8 ىكناءس کے 
سل 2کفاره ے بط بڑ كنا مول تال اجا بکرے ( سن نماز سے مم لزاه سب معاف 
ایا بل اورکپا۶ سے اکرو ےک تو وو کی موا ف موا بل گے اوراكر وب کی وپ ری وه 
كنزو روما بال گے )- 

خضرت ابو جري يوك ایک اودرو ايت یں ےکر حضو ر اکر صلی الل علیہ وملم تے رما اک ہاگ ایی 
آدل کےوروازے کے ١‏ ىل اضر پار+واورو دی روز ان اما لس يس لک رجا ہو کیا 1 
هم پیل لباق رہ کی ->؟ نے فرب انیس تضوراکر مکی اوشدحلیہ وسلم نے فر کہ پا 
ازو ںیک بجی شال ہے جس کے ذر ل ےا تھا یکنا ہو کون وک رجا ہے۔ 

ایک روات مس سے خضرت ابین مسحو نے فر ایک میں نے حضو راکم لی ال عم لم سے 

اش إل باذج فد اکہوفقت از پڑہھناء شل نے ل چا کم 

پر کل فض ہے؟ آپ نے فرمایاککہوالد نس تیک سلوک دکھنا ء یس نے بو اکچ رکو ككل 


على خطيات 5 ۱۸ ا سلام سکم کا تر 
أل ے؟ 1 ای وم ے فر ای اک اہ کل اش " 
ایک روایت ی ےک حضو ری ال وم نے فر ایا کال یا ماز یں پاندی ےر 
اواو را رسضان کے روزے رو اورا سے الک كو اداكيا لرواورا سخ ک راو ںی 11 
کر وا خر بل جنت می رال وما گے۔ 
ایک عد ييث میں سك حضو ر اکر مکی ال لم نے ف رما كسا يقى اولا دلوسا ت مال کر 
111 ص12 
ال٣‏ کک کے ركمو حضو را كرس ل الیرم یک دفعہ جاڑے کے موم یس پا هچ درختوں کے تے 
گر سے ضور ے ونیو لو ئوک رف ا کہ جب سا نآ دق ر ضا سے ابی کے ما تا ےار 
سكناه اک ظط را ہیں مسر اس درخت کے ے درشت کے ہلا نے س تس ول - 
ایک رواییت یل ےک ضر مرف سي نا مكورظرو کا سط رح مرکا رك فر مانب را 
جار یکا" ر ےن دی کت ہار اسب سے اہ کا موماز ہے شس نے نما ز کی تفاظت ی اس نے اپ دیا نال 
فا تک اورت نے نما زگوضا کیا ودوس ر ےکا مو ںکواورز یاد ضا کر نے والا ہوک“ _ 
لوٹ: 
مندرجہ پا عستي ل کو يل موجود ہیں اگ رع فی يبل د بجنا مواق وبال کول یا جا - 
اک عد یٹ آیا کر ےکی ناز يذه ل دده اك اتی وس کیاکی 
مہ یت مس ےورس الیرم کے فر ایا کیا مت کے رو زسب سے یل ساب نما كاب وك كاز 
كا حاب درست پا بال انا كا ى درست بوک اراگر اک حصاب پر باد ہوا تو اتی ا لیگ 
یں گے - ايك عد یت ل س کارت يرما درس ت بل او رج سک نا زنل ا یکا د ناما 
د ین نل نمال یت ةم شل مرك راچد ل ط رت کے فی ضس مک یکوئی حیشی تی اک ا 
از بی ردی کی جے يتل - ايك عد یٹ مل ےک الف تھا یکو ہن ےکی وه عالت سب ےا 
ند سج جلو هكبد ےکی عالت بل پچ روکوخا کآ لووكرر اہو۔ 
ایک هد یٹ نل سک ایی نماز ہش سح لحرو لكا جج دص مقر رک رم کر واو ركمو سان“ 
ناا ایک صد یٹ نل کک نے راو ری دورق ما لیس ووه جن می رف وراك 
عديث عل ےک ق نے عضا وك نماز اعت کے ساتھ بذع یگو پر بس نے ای راتک 


م نضات ۲۹ ا ازم من مق م 


وط دس سے 
۳ و ام 


تیر ارت ی نے برض نار جھا ععت کے سامح یڑ یو اکا ے را ست چر ‏ 
زو یں 


5 ° ff ہے‎ ۲ / ۹۲ 

ني زی( سرب دی عحبادت سے او راس كارا سس سرن بے ان اب مل سے اوط 9 
د جو فت ب اعا بی ا ے۔ 

30 


کم وه سے 22 ج 
رن مر ل کچھوڑ نے اورأفلت پر تے يرطت وگیم آل متا مس ای ط رح اح د ہت 


۷ لے ۱ لو 
حور الدع ول نے یسکره اور هدرم ۰ ۳ رور ا سے کی ٹس 


1 7 1 ا 1 مض 4 ,17 
قر اتی جوز د نان کے او رغ ر ےو رمان حرق للم چا یکی۔ 
اھ م 09 سے 


۳ ۳ صا ہم ہہ 
ایب ر یت س سے رحضور وا رتور بی اتف وم نے فر مایا لحار ے او رم سس سے 


لے حل تم oo‏ 523 
دران جوم مرو اورڈ مدا ری سے وو اج ل ےار مور وی و وکا ہو ني او رای حر بت س 


‌ 
۶ مر عر .: ماج کے لے ی ے سس سے بر 

ر۔ ۔ 1 ote,‏ 1 َ‫ 

رش ارو ے رهبا کہ ا سم نے بست ہیں و رهاز الس نے ول 
۳ ۳ ع 

3 و 1 ج ۷ 1 8 

دمح ت مو راو ریات موی اور" سے فزق فا كسا ی في" و س کے لے دور وکا و ردان عون او ر ہے 

ع 
4 


کات موی ينا يا مت سره رنه تا رون وف رکون اور مان وا ین قلف كس ت ہوا - 
اب 27 یٹ مر تضورا رم یع لم سے ارشاوار ايلم کے و شا یئ اڑہے 
ا : اور بر بس ارا نکوا نکی ضیل کا ۔ ۳ ہس میں 
2 ا فلح عن فر 2 م م سک یسا كرام ایال کش و فرش 
ھت و ےڈ تارج ود OIE‏ 


/ ی مار ہے۔ 2 


ای م یٹ م فور یل اہ عي وكام نے اپے ایک الي را ارات کی سکس کے 
ریت بجوم جاص کر درد با لگ مس ذال جا 2د وسر جات ےک 
بان وب رض: نیز ملز ول ع م ں ماك وچ مک فرش نما ز موز ۳ سح ۲۱ لت اتیل کی 
بل یت رو اب مت چکگ ی برد ا ے۔ 

ترت ا سے رویت عضو ركسل پت علیہ وم نے ف ما کش رھ نے جان بوت 


على خطبات 2 الام نما ذكامقام 
كران يعو وی بل اس نے رک فرکی ایک عد یٹ نل سک لك نا ضا موی( ارم 
نقصان ہوا كوي کےا لک ال وعيال اورا كاساداءال جاه موكيا ايك عدیث يل کن ُ 
بخ رعذ ر کے دوفما ذو كوا كشك کے پڑ ان ای ن ےکی روگنا دكا رتكا كيا ( مقر شريف ) 

من درج بالا احاديي کو رک ےکر امت سك فقها ء كرام نے ضابطراو فک کی کل سل بر فص مار 
را کا مدب نجل کے نز یک اک رکوئ یآ دی ان روزا ےتوہ مر موجاما لاق 
كاف جات اورووواجب اتل ہے ا كان كرن ارط ارک وجہ سے لا زم سج انام ا باورا م شاف 
هیوست پل زم سكا كوبطو زا ست کردے اں ل 
ار ادکی وج سك كل لصف زا 

اام وطیذفرا-2 کہاگ فا زک تو رن كرتا سق ا کل عل ال دیاہا ےک 
دا رما سے یاو کےآزادہوجاۓ _حطرت سعرى با فرماتے ہی سک يننا ز ىوقرض مت روک 
وض اکا قرض ادا كرحاود تقر ضكيااواكر سد سلطان با ہو کے ف ريا كه ےا یاون 
ےکر تان می لمت وفنا نض علاء ےکسا ے کہ بے نما زکی ےت لی بناه سب اورشيطان ان 
کے ساتحدسف ی٦‏ کیل ہا د هكتاس كد شل ای بدہ نرک ن دک وجہ .تیش کے لے حو ن شاور 

ولا رکد ےو ر | ج- 

رم حاضر ! 

یدعقام ہے ناک ادد یشان ہے نماز کہ ان لت تسج اور بذ عنم تی 
وید یک ہیں :تر یب وت میب رن ۹۲ہ پرایک عاشی گا ہوا ے ان ککھا ےک زماز ہہ عن تال 
از ىا لا پا انعامات سے نوازتا ہے (۱) ويا کی تش ومو سے (۲)عزاب تیر كفونا 
۳۱پ اک کی طر حگز ی( ۴) داش نام ا ال ےک (8 عفد 
حاب کے بجنت یں دائل موا اور بو فا اوی اورا روا یکرتاے ا کو مزاول ج 
(۱) سے بركت ا ہے (۳)چره صائينكانشان اا ورا يا سے( )کی کیل 
اب کی سل 06-6 دما قو لیس مل ۔(۵) تيك وكوك دعانوں می ا سک بی نہیں نے 
(١)ذلت‏ مات تآ ےگا (ے) ھوکامرےگا۔(۸) پیاسا سر ےگا۔(۹) انی تک ہو جا 
1 كال کی لیاں بد چو کرد ےگی۔(+ابادن را رتشا رون پر اتا پر( ترما 


على خطبات rL‏ الام شل فا زکامقام 
ب ایک خوف اک ادها مسلط كرديا جا (۱۳) تیا مت ٹس ال رت ع اب اور اش دک نغضب ہوگا۔ 
(۱۳) جم میں وال ہو جا ۓگا۔ ۱ ۱ ۱ 
كت ہی ںکہ جو ما کو ضا کرتا چ امت کے روز ا کی يشال رن سطرکی ای 
موک( )سے الد کےا کو ضا کر نے وا نے (۴)اے اود کیب کے م ورسآ بی ء( )نس 
طر تم نے دنا شس الف رکا ضا جکیاتھا تو اڈ تھا يك رصت ے الال موجا- 
میرے دوستو یا موز ركو! عالات ےکی ول سو گیگ ہوم زی صرت می مت 
تجو نا۔ اتی س بکرم زیامت معطا ر با ےآ 
گے مین ڑائی ض ار وت تماز 
قارو ہو کے زین ہیں مول توم چاز 
اک بی صف میں کڑے گے گور و ایاز 
د كول بندہ دبا اور ت کول بنره واز 
بنذه و صاحب و متا و كن الك »وم 
تترى مار عل ينك تو کی ایک ہوے 
ثرآن وعد عث 
جذ لح الْمُؤْمِْْنَ الین همم فى صلرتهم خاشفون)» (سورة المژمنون) 
ف قد افلح تن تى رسمه صَلَى #(سورة اعلى) 
ن اللو کانث عَلَى الْمُؤْمِيْنَ كتابا مرف 
ال الب ی الله له سل لصلوة مان 
ال علي للم تن لى رن لالج 
زان علیہ الام ال الصّلوة علی المَفقیْن لفجرٌوَلَِْاء 


على خطبات rar‏ از ےار 
ر٢‏ جمادى الال 1017م ےاوب ۱4۹۵ء جا کد کرو 
موضوع 
ماز کےآ داب 
27 
طف فلح المومنوْن 0ال هم فی صا هم حَاسِعُوْنَ 40( سورد ضون) 
"یمان دا ےک ميا ب مو سك جوا نماز می شورع وتو کر نے وا لے ہیں" 
روز حشر کر پان كداز بود 
اون بش یر بور 
نی انسان جب میدا نیشم دوبار داش دک رآ 2 سب سے وال نراز کے خلق ہوگا. 
مسا ان 
مماز وہ ای ک معبادت ہے اسل ا کے بہت سار ےآ دا بك ہیں اور ایک قانده ےک 
”الدین كله ادب “ می رین سا د ےکا سار لاب بی ہے .مکی وج ےک نماز کے1 دا بک طر ژر آن 
رم یس ال تھا لی نے وا رایس چنا غیرارشادے۔ 
بیع خد تک عند کل منجب4 
ا ےآ وم اولاد: نماز کے وقت اپن یآ رتش هاو 
لام ثا ال مقام لكت ہیں :خدا ا دك ولاب شاک جل تاد بر نکسا 
راش ہے پیات کے ونت دوسرےاوقات سے بڑ تال اسقهال ےک بنده اس ده 
در باد ل اگ ھت كام نےکر ہا ضر ہو ( یراس ۳۵) 
ایک اورآ ت مل ارشادموا قُوْمُوًا لله ق ین 7 ج :اورک ےرا سل کے ادب ے٠‏ 
اتال کت ہیں :اورفرم اھر رہوارب ےن راز میس الک کے نکر وگل > 
معلوم ہو جا ےک نماز کل پڑت اکا باتو ں ے نماز ٹوٹ مال ےکھانا پا کسی ے پا تک 
تا۔(ضص۲۹) 
آدا پ نماز ییا نکر نے سے هآ پ رات ارب کے تحلق ايل اصول با کے اود 


على خطبات ۲۴۳۴ ما داب 
رض لوک كته ر سے ی کاک ہم ےآ دا بکا انا کي مار با اورک کے ہی لک 
وی دیدرگ شاج :تام بھی وز ہو بای سے جلدی جلد کی يذه 
نما زو وما 2 اس واب ہے س ےک ایک نما زکا مو جانا ے اورا یک قول موك انث دنا یکا رای مون ےل 
از نے سے ال تور رک رضااورخشنودی ےکر دہ ال نہ ہو صرف از ہو چانے سسكا 
ردیل تصودفوت ہوجاے اک یآپ یش لبج لی لک ایک نے اپ فلا ےک ہد اک جار 
پازارے سی بت یوک 0ا1 اب غلا م ا مکودوطرح ے پوراکرتا ہے۔ 

الک فلا مكيا اورسیب یکراپ موی شش چک اکر ےآ یاود ا سے مولا کے سا تن زین بيه 
ذال دياادركب ل لیے ٹس ےآ سک ےع مکی لکردی۔ 

ترا مکی اور پا زار سے سیب نر ی رات عو لیا اور پھر ایک بڑے برک نر ے دی روٹس 
رکوکرا حك اد كلاب کے چن پوت رک د ے او درل اكد لك کے سا نے يز برها متلق سےدرکھاء 
ا بآ پ فو وپ نک رونو ں ورن رم تیک لی یم با ری کاخ رق ہے 
يم دور راکنا خر ہواہوگااور ریق سے کنیا نا رش موا وکا يغلا مكا 
الك ی اک مالک دوفو ل صورقال می مال ککا 02 سیب گرا ورام کي ب کل ای 
رح معا ط ال نماز یکا ے جوا رب کے سا كت ہوک رما می كرتا ےگ رآ دا کا یا نی 
ركها و ترازو ہوچا شور یک ز ریش گی الآ دا ہکا لا رکھا و نمازكق موی تی اور 
خوشنور یکاز رل کی بن چا گی ,سمشل کت بحرا پ‌ذاز بای ان جنر دا بسماعت 
را يل. 


از چ ں لپا یں ل آداب 
مال ت فراز یس ات اک ااستعا كرنا فر ہے ہنس ےر چھپار ہے مردوں کے ے ناف سے 
چاو رك سے اور ےکا چپ نا فرشا رل کے لے جره اود ول سكسوايهر سه بد نکا ڈھ اکنا 
نی ارت کے رکے پل اوران کی از ڈھاکناضردری ہے شس تفر سے اگ مز 
مر ا کا چوتھا کي ارت یت کا اج ایک رگن ادا ہکا ےت نمازفاسدہوجائ یگیا۔ 
اس کے ترپ بھی ںکمردوں کے لاس بل ال رو ری لبا ی سكعلاو ہک یاکیا آداب ہیں 
ولد بزل ما طرفت ہیں- 


على خطبات rar‏ ہے 
جو روس 77 ا 
ل ادب رک ہے اس کے يعد پی ے ہضور اکر سی اود علیہ یل مکی در فا ی کے 
اجکی تا بت مازعا آ پ کی یمک ماش 
تھی اک بی یبورک پور یحم رسای آ رها موف ره ماگ وتا لو عا قاع هس با 
7 
رآ نم یلآ ت خدوزنت کم عند کل مسجد 4 زیت کال مراد چاو کا ل زیت 
نيس شلوا رادرس مرکا یال فی سے وکا ز ین تكواينا. ذف الیل ناس جنا يضرت این 
ره اس لام نافع كو يكم کیب لبا شی نماز یڈ ھر ہا آي نے ف رای كياش نے کے 
یت کے نض دے؟ ای کہا گی بال دس ہیں رت ار فرما کہاگ ریس کے وكام 
سے با ہرک ہو ں تو نم ای عالت میس جا کے ہو؟ نام کہا یس :حط رت ای گر نے فر میک تالا 
سے زياد وق ركنا ےک ای کے لز نت تیار جائے۔ 

ایک اورردایت نیل می ير الفاظ باكر س تھے به رورم ےک ولول کے اوت 
دول نتم اكير میس جا و گے؟ ناس کہا ہیں بطرت انعرف فرما کہ مہ تا الیل تیال کے 
سان ےگملز نت ایا ركرنازيادوضرورق سول کے سا ۓے؟۔ 

علامیاوردی 20 ےک خدوازیتکم سےمرادسب وال اپائ ے۔ الجن 
نے ف رما کرز ینت سح مرادفياز مل وولبال ايينانا ‏ جوسب سح ز ياوه باعث جرال موص رف كارت 
راوس یسرک دوس رکنش رجات ذابرا كول نے اٹ كناب مقا تكوش کی رش اعا فرب 
تفیل ے بیان ی ہیں۔ 

امام بفارگی نے بخارى ناش ٩۵پ‏ ادا اک لکیا ےک ووا زک حالت میڈ یز گنا 
کے لاتم اي بط 
صابن بڑے امام سے مرکو ڈھاتک ل اکر تے ار ۶۱ يلول کار بات مول تناز میں اناما 
کیو ںکر کے تھے؟ + تا ما سک یکناب مودناک کے پا عات ےک ووا عا 
یس می كر کرک نول ,مسر نو لوا مشا بہت ھی پچاضروری سے ۔و یے می سکتاہو ںک ا 


على خطبات ان ۲۴۵ از کے داب 

یش نہیں ے او رت اشع کے لے سرنگا کت رسس استرا ھی رک نمل ٹیش ایک بار خاصاحب 
كر چاه نل ما كروكها مین ہم مان یراق نرق باق احرام کے 
دوران چوس رن اکر کے ناڈ عے ہیں نو وہ ارا مك مال تکانص وی ستل ےا ام کے مات قرا ام 
کے مسائل تیا كن یک فونقصور ے اسلام نے جس لبا سکو پئ کیا سے ذه یک لپا کی ایماڈ حيلا الا مرک 
جس میس اعضاءك فان دول ہو 

نماز يمل ہیں اورز نت اتا رک نے سا لہا سک ی بھی مراندت معلوم مول سے 
جوزیت کے کس نت وعزووری كا ال ہو چنا یہ استطاعت RES‏ ررض مر کل 
اردور وت کے لہا ی میس نماز یڑ عتا سے ذفقہاء نے ا سکرو کھھا سے ای طررح م نیس 
نيا نک یں می سکہتیاں اور باز وکل مول نماز بڑہنکھروہ سے نیز از را گی رکو ں سے نے يجام وسوی 
لكان تگروه ہے۔ ایک روایت ٹیل ےک حضو راکم ی اور علیہ وم نے ای ےآ د یکووضسودوپار وہنا ےکا 
م دی تھاجواز ار بن لولس لاس ٢و‏ کے نماز يور قهاش ريت مہ ر+نے ےڈ لے انراز ے 
لاس ین کی نماز کرو وتر ارد یا ے چنا یرد لکوتضور اکر مکی اٹہ لے ومع فر ایا ے مہ چند 
آداب لبس کے تلق تے۔ 

نازخو ضورع کے1 واب 

خشورع ضورع شن جھکناء عا رز ی اور اخقیارکرنا طابری ا عضا ءکو سكو رکھنا ت ر یں جر 
کردرکنا ره كه برا ری جماۓ دکھنااورادھادھ رنہ د نی نماز كآداب میس دانل ہیں۔ یہ چ زی 
كرش مولا نیا زار چرم ہا يكن ا کول بون مشكل ہو جا .اما احياء الهلو م میس 
گس کرو هیک ایی عبادت ے وک و توق ساس می ںختو رع خضو رل عا جت 
.ای طرر رع پل شتتو ںکی وجہ سان سکوروندڈالناے پا نوم ونر ول ملس یاد 
آے ای طررح زکو یران اورششورع فضورع ام دما ايل نما زو صرف بای كراور 
اثوال ہیں جب كك ال ل دھیان او شورع خضو اوریول ای تج تہ ہو ورانا کر نک لوت 
ہو جات سے ۔ جناي ایک مد مث میس توصل اللہ علیہ وم نے فما کہ الث تال ال وش ت کف نما زک 
کی ر فامتوجد متا ے ج بکک بندہ درا رد نار کرد سے ۔ 

ایک اورمد یٹ میں تضویلی اولہ علیہ وم نے ارنشادف ما یاک زو فروتق عا زک قاشع بای 


على بات ۲۷ از کےآداب 

اور ات يجيد كرا ادا سے اترک ےگ دك اہ ٹکانام ہے بس نے ای لیا ایکا بو 
ایک اورعد یٹ میں ےک پٹ شک نازرا ول سے تدرو کےا دو نمازا تی سے بعد اوردور یا 
سب نی سب ایک اورحدیث میس ےکا تھالی الى نما زک طر فیس دنا ہے ننس می لضم 
اوررل دونوں وال ت ہو رخزت اک الیرم اکآ یکو وکیا جوحالت ناز | 1 
ڈاڑھی ےیل ر تھا وپ صلی انیم فر مایا كرا ]د یکا ول ڈ رک یسو موتا تقال سكاعضاء 
بھی رکون ر جج حت رھ رتو کے تسا ےک ج بتک راز ل رج سل رخساراورڈازی 
يآ نسو بت ریت ضاف بن الب سے کی كبا كراش زثم یال یک رآ پآ لیف د ے ری ہیں 
آپ ا لہ ے كو ليل ؟ آپ نے جواب د کی نماز يل امك چک عار تی ڈالتاچ جنا جو از 
کو پا کر مو كبا كي لآ پکیے مہ رکرتے #و؟ آپ نے فرمااکفساق دفیارلو ککوڑے پرداشت 
کر ہیں تک لوگ ا نک دورن یرل ا سیخ رب کےا ای کیک وج ےک ےرک 
کرون- 

مل بین یبا جب نمازشرو حکرتےن كالول سک ےکم خب با كر وگول قاری 
اف لکن ٹیش ایکا ایک داق ےک اھ رہکی مسج رک یک خرچ راطا نكوال ونت بيد چلا جل 
نمازت فاررا موك گے ہی حفر از کے وق تأده مت 27 اور چر تک 552 
دجا ا تھا بل بن سد لتخا درس ےک وضو کے ونت رہ ہیلا ڑ جا تا تھاجب وب ی چا توفراة 
کیا ہیں محلو مکی سک اب کل بادشاہ کے ساس کھڑراہونا ہے یب روایت یل ےک سب سے 
پیل اس امت ےو ر کواٹھالیا جا ےکی کے ان نآ کی شورع ور لآ - 

رس 

كاردا يت کے تلق متا فر ست ہیں جب فرا ز لقلب امح وا نف اوران وپست 
+ خالا ت ادھ راد رک نيس بجريل گے :ایک ی تقصور برجم حا بل گے پچ رخوف وویت اورکولنا 
ضوع ےآ ہار بدن كل نلا رمو گے یزورما اوه يست رگا ارب سح رست ب كنا 
ہونا اھ اوھ نہ کنا کپٹرے با اڈ ویر سے کیان یال جر اراک م کے بہت ے انال 
واجوال لوازم شور شل سے ہیں ارق . (صهها) 


على خطبات ے۷٢‏ از ےآ داب 


نماز میں لح یل اركان کےآ داب 

از یش برك كوا يق جل رك لکرنا تعد يل ارکا نبا سے جمبورعلماء كنز ويك فش سے 
اورک اذك ایک مان ای مقد نگ رگ تو مہ لاو بد وٹ ركنالاذ كم سورد از موك - 
ا احناف کے ن ديك نخد بل اركان واجب ع اگ کسی ني سکیا نما واجب الا عاده موك افش 
ارا مو چا ۓگا- 

اعادييث بل تھ د ی ا رکا نکی بد ی تا کیراب ایک مد یٹ ل آيا ےک حضو رس اف علیہ 
1111111 1 1 22110131 
نیس ركنا ايك اوعد یت می تضوراك سل اي من فر ايا لاي ےآ دی ساسا لكف نماز 
بڑھتا ین ان کی ایک ما زی قولس مول ے کیونکہ وو کی رکو و فی یکرم ےکن بده 5 
کرت ارگ بده رات 3 یس ہوتاے۔ ۱ 

خضرت بلالا نے یتآ یکود یھ جر اه كرد اتا :ضرت بلا نے فر مایا كر 
ی دی کیت گم کے علاد هک اوت پر ا یک مو تآ یف جد یٹ می حضو اکر سل الله 
علی ول نے فر ا اکراوگوں مل ہد بن چوردہ ہے جونماز سے جور ىكرتا بک نے بو چھاک غاز ہے كب 
ور لا سے؟ آي ےر اكش كور کت 7011-0 اس 

یت عفن ایآ د لکودیھاجنماز ل كور رکد و كر تی اس نے مال 
کر ی لز خضرت ضز فان اسے بلا كرف رماي كت ما ئشل زیراو یک اکنا ےک شخت خیال باتک 
ریت حذ یف ف ان ےکا كد كرتم ای عالت بره ركع لو فطرت اسلام پل مرو گے يبعال 
سلاو كوا ےک ای نمازو لكوورست رل دبعب قيام یس ہوں ف یف یگس ہوں جب 
کرهش پا بل نے وضو يمل ز من برقي لكر بترا بل جوكضوقيا مکی عالت شس زین سےتریب 2 ہو 
مع نیا زک کشت کے پھر بات پر اک اور جر جيشالى ناک اور مسال دون ل ز شن برخوب جماے 
ر کے اگ رصرف ناک کے سا تيد كي ميت از ہوک اکر مرف شا سکیا ما زمر دہ ہو جا ےکی اور 
انل کے نز ويك نما نبل موك كيده ل رولوں پا لک یچ ين پہ مار ہنا ضرورکی ے او را پور سے 
کدہ شل ررلوں بول اك رہ نماز اس د عدجا ل بده شش بيك سے ران الك ہے اور باز وى 
لاست الك ہے باهذ نلاس او یی زان سے وب پچ کے رك ہونے میں 


يات ۸ء از ارو 
ا em‏ ۲ 7 لحت ۰ 


رو رورم ار هر رو م ع ےر سے 
را" كشوك ييل اناس جوز يان سے قيا محالت شل دور ہو ا چثان ل بک وغيره ره تال 


جارك نماز زس درس تر ۲2 آي 


واعظ توم کی وم پت خالل ند ری 
برق بی د ری شعل تال د ری 
و گی يم ان روح بال د ری 
قلف ره گیا جن غزال دہ ری 
مسر یی مش وال میں کہ نمازی نہ دب 
سن وه صاحب اوصاف كازق نہ رے 
رآن وعد مث 
طف الع الْمُؤْمْوْنَ 0 الین هُمْ فی صلاتهم حَاشُِوْنَ 0 (سور تومنو ن) 
(ذاقیمب ‏ لاو قاضانره تس عون هتشون وَعليكُم کین 
اد کم سل تک ابر (رواه ابوداود) ۱ 
قول یه ین هه عن صلویهمْ سَاهُوُنَالَِيْنَ هم راون رسورۃالماعرن 
تون الصلوة إلَارَهُمُ کال (سورة التوبة آيت ۵۳) 
عن ای هرن مول اللو صلی الل یه سل نه عن اذل فى الصلوة 
زان بفطی الرّجُلَ ف.«سن ہی دازد) ۱ 
عَنْ آنس أن ای صَلَّى امه علطم على الصلواة نها هل 
ينْصَرِفْواقبَلٌ انصرافه فى الصلوة . رسن نی دازم 
جل جلو جل جل جار جا جار جاو 


على خطبات ۲۹ اسلمکا سارک ركوج 


يفخ اج كن کہ e‏ جح ہس _ . 


جع گر جب وم 39ل _۔' ٛ ئ٠‏ عیام سهد يضرو راي 
موصوع 
اسلا كا تیسرارکن زكوة 
مم اود اشن ارم 


فان تَابوًا وَقَامُوا لصّلوة تالک فلا هم ان الله عفر الرَحیم د 
”يمرك لگ از کرش اورنماز یڑ هانگ راویند کو بلدا لوچو نتفر 2 
وَقَالَ عَلَيْهِ السّلام یی الاسلام علی خمُس شهَادة الا اله إلا الله وَإقَام الصَلوة 
وتا ال کوة روم رَمَضَانَ وَحَج الْبْتِ (مَنْ اْتطا ع اه مبیّلاد) 
حضو ر اکر ی روم فر مايا کا لام کے پا یرک ارکان میں (۱) وی دنک ان 
تھا ئی اپنی زات وصفات ی یا ,(۳) ازج نا( ۳) زکو ة اداکر ے ر ہنا( ۳)رعضان کے روزے 
ركنا (۵) اور بییت اٹ رکا ر کر (بشرطيل وہ ما استطاع ت رکا ہو )'' 
كمسا شين !! 
رک لفت یس بذ عن وطهارت دیا رک سک ل . 
علا ھی رسي سند شیف اب نریاب( ١١١‏ )يأك ول : 
الزكاة فى اللغة الزيادة وفى الشر ع عبا رة عن ايجاب طائفة من المال فى مال 


مخصوص لمالک مخصوص. 
يتن کو ۃ لفت میں بوص وتر کی کے کن بس ہے اورا طلا شرع لول ا لك لصوي بال شل سے 
يلصو حص مال کے داجب موسفكانا م زک ے. 


7ھ م بد یدورو ثيل فض ہو اگ تر آن می میس لف زک کول ویز سلو 3 كسا تونق ييا 
۴ عقامات ب زک کی گیا سے اورصلوة سے دید مک بول میق رن نے ا کو زک کیا ےک سے 
7 کت او رای فرشیت اور رکنی کا ید چا ےکلہ تو حیراور از کے بعد اسلا مکا تس رانیم 
لان ركن سا ذكا رك نے دالا سادا نكل ر کارا داشگ نے دالا بہت د كنا مکار موتا ہے دنیاٹش 


“می خطبات ۸۰ اجک ان روج 
ا ال وبال جان مین جاجا س اور رت يل عابتا سامان ہو جا تا ہے ادرا کی کے اکر نے وال 
کان اور نشار ہوتا ا کے مال مس رکا ال ہے اور فرت شس ہہت زیادوڈ اب نت 
زو واراگر نے کیفضلت 
زلا 3 کے فضائل تو بہت زياده ہیں سو اک نشت میش کی لكرنا بہت مكل ہے جا ہم مس چ 
اماد تیب وق بی ب ےآپ سكسا تي یکرت ہو ںآ يكل »ول ےا عت فر ال _ 
تضور اکر صلی ال علیہ 27 ایک سال سوال کے جواب نل فرمایا اپ ما لکی كو 
دیا گر وکوک وو زکا؟ ےپ کک ترش ردنت اص یی قائم كك 
ایک ادع یٹ بی تضوراکر لی امس ارشادفر ایا کو لام مطلب 
ےک رک كادي بل سبك اددسيية ولا ال ہرذ رک پر رش نے رک نہیں رید 
دوع لكر جایگا_ 
ایک عد مث می حضو راک رمس ار لم ےرا کہا سلا مآ ھتموں تل ے ایک 7 
دمص رارصا ہام 
قن لك ہے اال حص بها کیل اش ادر شال ص اھان دمم جوسب لقو 
3 
ایک مد یث لتضوراكر سل الل علیہ کا راد ہے کےا موا لك تفت کے لئ روت 
فلم بنا اورا ۓ پچ ی دول تلان کے غر صرق ديا كروي ایگ اور مد یٹ ٹل حضو ر اکر مکی لله 
ليم نے فر اک جب نے ری 7 تا مال ذ مردا یا تو نے لور یکر ی ورج ران نے 
۱7 ا" اکیااد رد ہکان ا عل يد فوا ٹیس اوت کر ےکدگا و اگ ہی ۰ 
( تیب وت بيب از ۵۳۵۲۵۱۷) 


کا اراء نف روكيد ل 


ل صاب فاب مک یٹ اورف رآ علا 
ہتخت ید یب جيب رل ارب اباد 
ایک مش تک اي نرا کر دون سب سل نآل 


“ی خطرات ۵ اسلا مكا تیسرارکن زکو چ 
فل ہوں (۱) ام بادشاہ(۴) دہ الدارا دی جو ما ل کی کو داشگ (ح )مظ رر 

2-2 خرس کل از اور دک 3 كاك تالو يك یم تی 
کت نے لق ادانہکی ای ماو لاک عد یت تضوراكرمصل اون علیہ وم نے فرا )کج 
ری اسن مالك زک اد انی كرح تو ہے ال قيامت کے دن ایک اند كنكل اعت رک ےم جل 
امون دواو قط ہو گے وما کے گے بل بذ جا هگا اورڈ سے مو سكا میس تیال ہوں یس ترا 
باوج تن رک ةدايسو _ 

ایک مد یٹ یں حضو ر کرم مکی ار علیہ یلم نے ارشادف ما کہ كل ة دی والا امت کے روز 
نم میں ہوگا ایک مد یرٹ می حضو راك رص علیہ یلم نے ارشادف ما کہ دک و حش کے مال کے 
او یتو وہ ا سے لا کرد کی مطلب یالما ردق زکوة اراک لک اور زک وکوا ۓے مال 
کےساتحھطا ۓ رکھا تذ رکو 7ا کے ما لکوت كرد ےکی دوسا مطلب ىہ ےک ای فک خود بال دار ےلین 
وودوسرو ں کی کر نےکر اہی مال یس شا كرتا ہو زک ۃ اس کے ما لکوت ءکرد ےکی ۔ 

ایک عد یٹ میں تضور اکر سی ال علی ےلم ے فر ایا کے قوم نے كو کو بن كرو تو اللتھالیٰ 
ا نوا شس بلاک دبک ۔ ایی او رحد یٹ ںآ یا بک سٹو کے کو ود ہنی بن کر وینو اشتخالى ان سے 
پاش روک لیے بحفرت این سحو فرصت نے علال ما لكاي ليان کی كو ةادأ 
كمال ”بیت :ان جا ےک اور ےترام ما ایا ہد نے سے دہ یا لال ہوسا 

مطلب يكز هادع كس ےکی نیت سے كو لك دی ا بک نیت سل او راگ کی 
نے ٹوا بک نیت سے ک خر جب وغی روکوترام مال دیا فقنهاء كا ےک کف رکا خطره سے 

ایک روایت ل ے کرد وگو رم حضو راکم سل ال لیے ےلم کے سآ میں اور ا کے ون میں 
ہونے تكن تحضو اکر “لی الوم پآ رک قا در ہوانہوں ن از ضور 
رل اللہ علیہ لم اك سے فر مایا ک ہکیا "یل یمد ےک الد تھا ی کے ون مكو 
پاد سے خوا یں کہا لین تب تضورا ری یلم نے ف رماي كاك دک اداکردیاکرو۔ 

زا مز و قا كنا اسلا ىتوم تك ف مرداری سب 

اسلا يكلوم تک جتبال اور ؤم دار یاں ہیں وبال ابیز مدا ری کی س كرو هسركارى طور ير 

درا م نكر ےگ راغسوں ےکہنا تا س ےکیمسلرانو ںکی دنا ل “فى سل مو جود ہی قرب 


عي خطبات ۲ اسا کا سار ركوج 
سیون نے تس می مھا ہوا ےک اکا کا مر فک ری اق ارتک بنا ہے اور را كرى پر 
برق ارد ہنا ےک ریا ب برقر ادر ہن کے لے جاتر بے استعال مو كلت ہیں ان سبكواستعا لكر سه وص 
اوردھان ہی سے مسلط د ہنا ان سبك الین ريض متنا سج يكن ان تامدص افو لو یل وان 
کہ قیامت کے روز سار کلران بند ل ہوے بات ال تی لى کے تضور جا میں کے اگ راھوں نے 
انصاف امک ہو عرل دانصاف ان کول دیک درن اى طرح بند سے توت پا تج و مکی طرف 
ی كرالك میں ڑا ےہا نبل سك لانو ںک كرى اق ادا یک خطرناك بی ےکی وکا سک یکی 
بہت بای اسلا ی ذ مسا یال ل .یال کل وكشرت کے کیں سے اور تہ انی خوا مشو لك ب رآ ری کے 
2 سے يللد کرو ڑ و كوا کورادراست پر چلانے کے لے ے۔ 

حر ت رفا روق نے فو فر ما اک اگردجلہوفرات ک ےکنا رےکوئ یکا بھی کوک سے مرا سے 
یس ا کاذ مہ دارہول بج سے أ کا سوال ہوگا وولو را تمر عایا کت گی رک كملع اورهصیبیت ز دولوگو نکی 
ردو »درد كبك کیوں م لكش تکیا اک تے اوراث کنرعول بر غورف ی بوری اما 2 يبول تك 
جات تھے گے ہا كي استعا لکرتے ے اور دسترئوان یی دوك مک کمن تال 
کرت :مظلومکوفو رک طور الصاف مہ کر سے ها نا مکتا با ا کیوں نمو اسلا احا ٹا 
نما روه » ڑکا ةرج اور دیسکا رک طور برس ربق فر ا )کہ کے تع انحو نے مشرق ے مغرب اود 
جب سے ا تک دنا ے اک ڑتصوں كوم تکی مان ربل اسلا تا نکونا فكي ور تفش تا 
کمک اولان ذ مدا ول اورف راض عل سے غا کی اکر سے سے ای لئ ا نکی کوت یک میاب رن 
اورا نرات سمل ری اورا نکنام رن نآ کل بينام باد اسلا یوت اسلام انا 
دار لول اورٹرا نض یس ثارتو کن یں کن ج ںکہاسلائی اق ارکوفر 07 ين زط مصلو واورظا) 
كل ا مک اوروام انا كواسلاى خطوط ب لان اوم تك ذمردار يل سم ےک یلگ 
ا کام نيل لالتلا مل ناكام یں دام ان سنا ل ہے اوران ےک رف تكرت ہیں اب تک 
يترا مرب اود ورپ سے بن لك برايو ودرا دک اکر ے كول الى برا رواد شا 
کا کات پاکستان ل وجرد جب برا یوں سے یک کگھرگیاقاب پک ران با 
ولیک ےک لكر يل گے ہو سے ہی كال کک سے عدارل وسا داوع کس ط رن | 


8 بات سے _ AF‏ اسلا مکا تیسرارکن ركوج 
کیا مھا سے اورعلا م کو سط رر دبای جاے اورعام معاشرے ثبل بے د ہنی اورالھا وو طر عا مکیا جا 
ای کے بد لے می ا وخر بک طرف سے شاباش کے پغامات موصول مور سے ہیں اور یخوش ہورے 
ہیں ورد ینک سر هکل ے صد بق ایر کے دورخلاف کو وک ےک رف ایک اسلا کم زکو 3ے 
کول رتا یکی دہ لوک نماز اداكر کے تھے روز هورق اوراسلام دایما نک اقر ار ے تصرف 
کر كال رح اکا رکر سے ےک کو کات حضو ر اک رم اٹ علیہ وس موق اب حضو رم علیہ 
2-1 يم جباد 
کا اعلا نکیا ارت تنل مويل اور بای خو یی کے بعد اسلا مکا يكم ددياره تافز صمل ہوا بش 

"انطع خی وت ال یفص ان وا حى “ 

“ني وی اب نوی سے اور د ین اسلام جر لاطا سمل ہو ييا ہے يا ين شتا اور را 
زندورہوںگا؟ پل +وسکنا ے .کل کل راقول نے زک 3 کا یک نظام ایی ینہ اور فا ده سك لے 
نا نکیا سے مسلرا فون کے اموا لكو رباك تے ہیں ورگ نظا مکی وجہ سے اپ آي ويس ملعت ہیں 
ادي الى »رافظ اور جنر هت بل ناكا نكو سے بے جا س شر یک یتاک غ م کو 3 ےنت ول 
كل كك اح جرمعلوم بو کون کم اورکون فی سم ے۔ 

زک اورک میں فرق 

22 کے لوک زکو جر تک اوردین اسلام يكم کو کا نراق انڑاتے 
ہس حا کہ زک تاو رش عل بہت بذافرق ہے چنداقیازات شل تا دیول - 
(1) زو 5 عبادت ے اوركال عار تل )٣(‏ ک7 تیال اوراس کے سول كا 3 ال 
اوو نکم (r)‏ بالدارول ے نےکر غر یو لكو ديجا ينال خریوں سے لكر 
الدارو لكو ديا چا > ( 6) زكوة ے بال نصاب اورطافت ضروری سے یس 2 ول 
اب مق ري (۵) رک تعلق لیے د سے دول مسلران عمجم دنرم 
7 انز موم سے( )زک کا 1یک مقر رکرو وحص الث جل شانراوررسول ا رسکی اش علیہ وی مکی طرف 
سے ن اس شلكو یکی ایس مركق سے بی كاين انسانوں کے پاکھوں 200 ارگ 


على خطبات Ar‏ امک ترا رک زوج 
كمسل زیادہ موجادبتا ج(ع) کد 3 کے نظام سے نر يب اود الما کے ددميا بت بيدا مول جر 
تك سے الداراو ريب کے درمیان ففر یکی مع نمو جال ہے اس اجا لک فصل ا سط رر 57 
کہاگ ایک الرار طور پر زک وق اواكرتا ےل روہ یب جن کک ال الا رل زکو 7 جال ےر 
مالداركا یدرد خرخاه» دعاگواو رای کے ما لک محافظ بن جا تا ےکی ومکفر جب ہے جا باستكال مالدارے 
ال شش مراك حص سح لوه اس ما لک ترآ اور ارارک زنر یکا ی ر ہتا ےکن اس کے ہنکس جب 
زک ةكانظا متام نہہواورظالما :نک خر ول اج وت و دلوك لا حال ہس احا لکاشکارہوجاتے ہیں 
کہ یہ مال تو سا دای سا کا سے جو بل ديا ہے اک چذ کے ارس کے بد یب «الدارك 
شن بہوجاجا ہے اوران کے ما كا وین جاجا ے .ہیں سے ایک طبقا ی مکش شرو »وا ےجس 
دعوم سشکزما ورس با یدارا ظا مکی طبقالی نکپ اہول ہے۔ 

تفر !! 

او ےکی ہوئیآیت تعاطا تب "یتلوم یرو نكل 
ام كنهذ دک سارک دا صلمان اكرات روك کے ہیں امام اترم شلام 
الک کے نزد یک اسلا تومت كا فیس س کار لصو ارت گر سه ا ست کرو »اما 
دک روج اود مالک شاف نوي ورا 

امام الويف فرماتے ہی كرات خوب زولا بكس اورقید ييل ر کے ی کک مرا اه 
کرے رما لآ اور چھوڑ نکی کے ر يلال ر سے ملین زکو 7و کے اموال لومت تم 
زا ۃوضصو لكر کر وولو لومت آمادة چیک و تو راو راست پرلانے کے لے جن کا 
باسة نرت گرد تی شی اعد سکس رارقا کاوا کک مد یت ارتا 
2 دروف ے۔ ) قرع س۲۳۹) 

شتا مار ات ما ۓآ ان یارب الوا لین 


رآن 
«خلین رهم فا تورم نز هم بها روردهویدتیت ٠٠۳‏ 
سبح لأنقى 0ای یی میتی 4 (سورة اللیل آيت >۱۸۰۱) 
وام لصلوة ای الکو .رر مم سس طوَمِماررَفهم فون ربدم 


على خطبات ۳۵ سال زکو؟ 
تو و e ae‏ 
جم ۸ر جب 11٤ا‏ ھک م1 ۱۹۹9ء یا مع سهد ہاش ردڈکراچی 


سس 
ال زكوة 
مرک ارم 
لهُدَى لَمتقین ين يو تون با لیب وَيُقِْمُْنَ الصلوة مم رزقا هم 
فقون 140 
“ل (فرآ نرم )ان زگ دول کے کے ہدایت ہے جوفیب برايمان ر کے ہیں اورنماژ باکر 2 
ہیں اور ھنم نے انگودیا ہے اس سے مارک راہ مشش خر يكرت یں 
قال علي السلامرافزا زکوة فلکم 
حور الل علیہ یلم نے ف مایا کاپ مالو ں کی رو ا ایا اگرو. 
تمرم این 

ایس ےئ لکش جع کو یش نےآپ کے سام كو کی ركيت اورفرضيت تا موش 
کیاتااب نشل اتا ہو لكآ کے سا نے مسال کو هلق بذک کردوں ان سل می اکر چ 
ٹیس سل ایبول کے کرای کے لست والو ںکوزیادہ درل مول کن چوک برد تن 
اسلام کے ا دكاءات ہیں فراش اور واجبات ہیں فو زا سكعنا او رکف رکھنا فاد هس تا نیس موك 
اور بہت ممارے احباب اك الى مول کے ۳ کے رشت دار ارت دار ووسرے علاقول ذل بول 2 

ال یال ورجش ہوں کے جب رح رات ان سل کےا ال کو ا تل ساس ےآ 6- 

زک 5 اوركش ربل فر 

لج ت مقر یل ایک زک 5 كالفظ ے اور رورا لفت رکا ردو میں حت لوكت ہیں 821 
یبای »تسج کم تغل اوقت نص شرك واجب ہہوچاتا ین رک ےتاگ رکے نام سے شہور 
ہے ارو کج کی کے ہیں چنا چ ہک لوک جات ہی ںک کے ذزیادو تر لوگ ال زک ی کچ 
يل .رمال ز من ے جو پیروارحاسل مول سے جا سے وک غل ہو یا در خو پل ہو یا اک زین 


على خطبات له مسال كوج 
و 
مس شیک یوں کے کے اش ہد ہو برع اسل ش هيز فلج 
د مس عشری زم نكو آسالى بارال پا نے سيراب کیا ولد اک میس وال مور 
زر ور شین برلل مت که سیا یوب دی رس 
بابرا تم( کال )ال چم 
رجا اور يركنت ومشقت مول ہے ال - ےریت نے ماک پآ بسا نک نم كتين 
مسواں < رركا ے جمبورعلاء نے فر ایا سے بیکش رکراس وفت واجب ہوا ہز می نکا غل ( مس )من 
اصل ہوچاے ا ككش اکن اک احا کا تک يسنك ناح گی فر جل 
ل ہوجاۓ اس می کشرواجب ے ان | سوق تكثركا ام ام ايكيا هده رای 
سک کے مطابق يك نام انا فق فى کے ماب را کے یں رآ نيد کرک طرف ال 
طرراشادهکیا :ظوَاتوًا خفه یوم خصاده ط4 ن زک یرادا رکا دے دو جوا کے 
كك وتم راجب ہوجاجاے۔ 
شر 
تن جو غل او رگ لق تیال نے پیدا فرماے ہیں ان کےکھانے سے بدو نسنر کے مت رکوہ 
ال دو بات ںکاخیال رواک میک ہکا اورا تا نے کے ات ی جوا کا اس میں ے وو راکرد 
دوسرا یک فو اور موتح خر م تک اٹہ تن سے بيبا كيا مراد ساس میں علاء سكلف الال 
یں اہ نیک رکی راس موم مول كابترا کت اور ہا کی يبداداد لس وحص كا 
واجب تھا جوم این وفقراء زت کیاجا ا مد يطبي كر رگ جک یی اس کی مدر ون 
تيب لكر یک تن رای کی رادار ل ( بش رطيل ودر ارك ت ہو ) رسوال حص او ری یں 20 
سوال تصرواجب ے۔ ( رطس ۱۹۵) 
ابآ شرو زک ٹیس یھ یادئ فر کی ملا حطر ماف جو چنروجوه سے ے۔ 
0م تک لت رل ماب روز نع ہو جا 
وه پار یر سکم نہ ہوا پرکشرسے جل زكر 7 کے لے ایک مقررنصا ب ضروری ے )عرش سال 
كذ د كا دود ايض رور نيل بک سال می اکر دوفصلس تیار رتيل تو دووف شرج وكا جب زک ب 
ضرورك كال سا یکاروراء كز رامو (۳) لاعن رز نس لے نو کا ما 


ى خطی ت 5 FAL‏ ما ركوج 


راد بق ر سے جل اس کے مال 2 یش زکو ةنيل سے( )اک 7[ ۳-۹ 
بال زک واج ب یل میک نكشروا جب ے۔ 


اموا ل سا تم میں زو چ 

سا مان جانورو لکو كت ہیں جو اکٹ سال جاگ موں ٹیل 2-2-2 ہیں اوران کے ما ره 
او ایکا کے با لكك پر پڑتا ے اور يرسا ترجا فور وہ ہوتے ہیں جواکشر سا كمسل حا رہ یگ ارہ 
کر تے ہیں ش ريدت مق ہے نے زکو 5 کا ف لیض صرف ان جاندروں پر عات دکیا ے جو ”کشر سال چ ے ہیں 
اور نكا بو چم لك پیل يجا بال ابت اكر ہے جانورتجارت کے ے رکه 3 ہیس يمران ب ہرعال 
مس كو ةفركل ت. 

تن جاو رول پر زکو عا کد مون ےا نکی تل ن میس ہیں اور جرم سكا نک الك احکامات ہیں 
اول کم ون دو گا كيس مسو مک رک ری . 

اونوںکالصاب 

اكثرسال ج نے وال اونث جب کک پاچ ہیں ہوجاتے ال شں زک 7 یں پا ونون عل 
ایک ری کو ۃ یس دیق اجب رکف بیط ریت ول اونڑں شل دويريال » يتدره ش 
ین ءاورٹیں یں حا بكر يال بطو ر زکو داجب ہیں چو لكك ی بر يال ہیں او يكيدل اون میں ایک 
ای او فيض سج تجسكوووسر سال شور ہو جك مد رل سے تن يك ہایس ے نل اونؤل 
یش ایک ایک او فض + کوتسا سسا شورع ہو ہکا ہو .ال طررح یساس جا رک د ہتا ےکک کو 
اماد یٹ اورفترى )كما بول س بيا نكي اكيا > دبال بدا 

کا “مش لكانصاب 

کے اوريس زکو ۃ کے نصاب می ایک عوك رق ہیں ری ںا نے يي كبيس اكثرسال 
تچ نے دالی »ول اس یل ایک سا لک یرد یا اس را سک پل اور چا بل ٹیل دوسالہ بی 
داجب ے۔ اک رع آخ رک ريسلل جار ےگا + سکواحادیٹ وف ہک یکتاہوں عل زک کی گیا ے دہاں 
کي اس کے اوريس بلا سنا مطلب ,سکس ٹیس گا ۓ ہیں اور رین یس ہیں ت مکی 


/ 


“ھی خطبات ۸۸ سال زرم 
شوک رد نساب روا سے كان شاداد فاد کے پار 
زک 5 ویش ديا جا كاملا ايك ال لكا ياده یت گا ےکا دیاس کار رج یں میں 
سا ار اتا ےر 
سے چا دید سا میں سکم یس با قئال >- 
ر یر و ںکانصاب 

راو ركرك کو3 کے اپار ے يكلسال ہیں اگ رده ده نصاب پورا مو جا تا برف )م 
زکو اجب وچا ی اور گرا نے سے نصاب لورا ہوتا ےا دوف ںکوطایا جا كامسا ل یر بی ہیں 
ريال ہی یک رال یرک واجب ہو جا ےکی ماقرا زياده ہو لآ ا اعم سے رل 
جا ےگ اگردوول برایرہو لق ما لی ککوا ار کل سے ادکرے. 

اج کر ہیں میس بكس پل یں ایک کرک س ایک سو می ليك پیش ایک وان 
سے و سوک دوکر يال اور ھر رو کے بع ای بک ری پا بھیٹر کو یس وت جات كل یور کوج 
شزا دول تيرتس :الہ ایک ال كابج رماث 

سونے ما ند ىكالصاب 

اموال فقي دوم پر ہے سونا اور چا ندکی اسل مال و سونا اور چا ترک ے ہے جولوٹ سه بل 
تضیقت میس اس .الى سيد ہے می وج کول اساسا یک دوات تن پا دو بيعل 
الومطاليء پراداکر ےگا" 'اک عبات سے بق تك لكرسا حل ےک يكافذ ال ال تک اه 
دیق 1 ب اگ رٹ کے يال ما سات ةق لے ونا سے ہوشیں خشقال کے وزن برام جا 
لض پرسونے مم کا ادا داجب ہوجاتاے۔اگرسوادی كا و میں دينا ے نو نضف شقال ديا 
ادگ قبت کرد پیت زک ديا تابر لش ایک رو یاک بدا .گر ماڑے 
اتا نے سے سو کم ہے اورچا گنر رب 
کا اڈ سے باون لال چا نوک چا ال پک داجب ہے اكراس س ےکم جا نرک ے اس بھی ساك 
ٹیس سا رض با ندل كان اة داب یں ہوگی۔ماڑ ے باون ول انی از ما 
جب اک پاب پر کین سے کال طر راد ہا ےک ریس خر مراف 


لاطت سعد ۳۸۹ مالل دود 

تال جاک رازگ نہ پا نکی جود ودرا ہم کے امس مس باج اا 7 
اوا کے ما میں او دار قب تک اتبا رک ين کے قوذ اس تمت کے لے انرک معیار ےل ن ماڑے 
او نتو ليا نر ىكل تست جو اعونت تر یماساڑے جد جرارروے نت ںاور میب ے١‏ سی 
تاره يك ب ہو سے ال جب نیا لوا اورا کی 2 مت سا کے جا لو یر 
رین اتب سول فر قش اتا ے بک ریا ی رو بے میں ایک دو يمي کو کا ے۔ 

مال طور باکر سا ھے مات اذ نے ہو ےکی قبت ۳۵ جراررو یه ت ر لس 
رو سے ایک ردي کا ےکا سلسل شور ہوجا كالى طررح ساڑ ھے باون ول چا ند ی كل تمت 
متا سارٌ_2 چم ہرارروے سے نوها شل دوب سے ایک دوب کرو لا جا گا۔دسوٹش 3 
اد لآ سود ل شی اورایک بزار ذل ۵ رو ےد یاس مواقم يل سال کے ابتراء 
1 سیکا مال م رر ره 
مق پش کے مد بین لت کیا ے جوا کار ی کرجا ےاو رواو موجو نیش سوا ہے مورت می ال مال عل 
رو شآ یکی ای صاحب صاب اورا تن ےگ مال کے لے بل ےک 7 ال دل عاق 
ماس 

تيار فى اموال بیس كوة 6 اضبار تمت کے لاط سے موک اکر وہ بال تھارت ساڑ ے باون لولم 
ند ی کی تمت کے برابر #واقوال يل زک 3 سے ور نکی اورتهارت کے ے جس ہہ وى استعال 
م ل ہا سے ل جل بھی حیارت ہواس شل زكوة فض ہوجا هگ ۔ چا ہے دنت کے تی ے 
ہوا ادات کے تھے سے موجبتهارت سك كنواان سے ہوا اس پر نكو آئ یگ سام ے پا و ن تو نے 
کی پا تر یکی مت وق یک ر نے کےساتھ بق را سے بر ب لازم س ےکر دہ ارش ار سے 
تست پچ رزوی 

ادا گی زکو ی جندشراط 
زلا چک عبات ہے اس لے ا کی چنث ی رو کراہوں۔ 

926 ہوا ضرورى ے ليا اناما لغ 0017 سے۔(٢)‏ کو دی وا اسان مون 
ورک سا كاف ري زکو تس سے ۔( س٠‏ )عاقل مون لبذ نان پر كل تس جب چون اک بيط ہو۔ 
() نصا بکاما لك مدنا اوراس نصا ب بسا لکاگز رجانا-(۵) اس ما لک۱ رض سےتفوظ موی 


عھیخطبات r‏ سا روج 
کا مطالہہ بندو ںکی طرف سے ہوسکتا ہے۔(٦)‏ اس ما یکا ضرورت اصلیہ سے زا ہوا رورت اسل 
کے 2 جو مال بمواس میں ركو یس مرا يت ».کال موا رک سک وس مرس 
کے غلام قاطت وجتباد کے اسل اورای طرر برچش والے کے پیش کے اوزار رهب زنل 
ضروریات ں رال ہیں تک گر الفا ل خلاصہ ہے كم ج جز ہان یا بوک حذاظت کے 2 
رو ری ہوووضرور یات ال ے (ے ) ام اطع را نکو کو ترس کال اگ راس نے 
زی وکیا تھ دک وصو لکل نو رد اپ ےک اک ہ شقن يرال نے فر كياج اکس ارتیم 
[ یک ورت ددبار ہچ عرف عل رکو و ايك يع چند سالپ نے اعت فرك اتال 
می لک رن ےک وی عطافر) 2 
آمین يارب العلمین 


305 سر ۲۷ مصارن زگ ق 
وارجب ٣ھ‏ 999/2۹۸ جح یا مرم رود رای 
موضوع 
مصارف زكوة 
سم ایل الکن ارم 
ما الصَدَقات لِلْفقرَاءِوَالمسَا کین رامین للم هم ّفیالرقاب 
وَالْعَارِمِيْنَ وفی سَبِيْلٍ الله وَابْنٍ السَبيْلٍ قَرِيْضَةٌ مّنَ الله وال ریم حَكِيْمْ 60 (قبه۱) _ 
ن صقا ت ل مرف خر یو لک وتنا جو کاو رل زکو تخي نکارکنو نکن اور نکی 
ول جو لىنقصود سےا نک ہے اورغلاصو کی کرد ن ترذ تصرف فکیاجاۓ اور جرادو الول کےسامان 
صر فکیاجاۓ اورمسافرو لک عدد مل خر کیا ہا سے يكم شتا یک طرف مقر > اورال تھا 
با ےم ادر یوک کت وانے ہیں- 
وعن عطأبن یسارمرسلاقال قال رسول الله صلی الله عليه وسلم لاتجل 
الم هه لیلخ ترا فا زفی ميل الله ٣‏ )ولِعَامِل 
علهارم اولغارمر»)اریرجل اشتراهابماله ۵ )وجل كان له جازمسکین فتضدق 
عَلَى المشکین فاهمی الْمِسْكِيْنُ للْغيئ . (مشكوة ص ۱۱) 
ریت عطاین اک مرک روایت يرأ لكر ست وضو راکرس رل سلم فا 
رک کی الدارا وق سكعلا لل ےءہاں با م کے الدارول کے لے جا ہے۔اول :مار إن 
ادرفازيان اعلام کے لے »وم زک کے کارکنوں کے لے ہم نف ضرارول‌اورتاوان 2 
الال کے ے۔ جبارم :این کے لے بوچ ال سے زکو 3 کا مال خر ید سل م :ال مارا کے 
لے کوا لک یب بو ور ہر بی زکو ۃ کاٹ شر مال ديد ه- 
كرّم حاضرمین!! 
شرع مالدار کے ے نكو د ينا فض اوراب آم ہے اس ررح اس کے مصرف میں لگا نا بھی 
لازم اورا مرو فش یوی سے بد رتم دنا گرا کا مصرف کے نہ ہو رو جنس مرق 
ینک زم دار بھی بوريس بو اور ای یٹ ای سمو ی کی رل اداكرتا چ اوري مرف میس 


غار * 
ىنطيات ۳۹ ار 
کىص ا تا ا جس کت 


اج ےت ذ سک اقا اور ارف قولیت؟ کی ما صل مو حالم 4 کی مر ےا رر 
آیت ۵اس تال جلاک بال بت او رجش مک بھی خر کردا ول یی نش بر 
اس سوال سے بڑ ےکر ام سوال ہوناچا سے ےک ال ضر فک کا محر ف٣‏ از 
ال کے تلتق سوا ل کی تھا اہ توالی نے اس سے اتم با تک طرف توج دلا كدي بو یھو ما لکہا كبال رخ 
کیاجاۓے؟ ال علوم امار ف زک كل ى زک د یاضرودگاب -بال الک بات کار 
مرف ج ہیں لكا اور زک خلط کرش پک یئ تو زكر ةك واوا مول کن تو اب ازن لر ےکی ور 
رال اس زک ود بارواداکرد ےگا سل ایک عيش كوم یی ےکی ےآدی نے رات 
کو 3 جور کے اتی سپٹ اوک .د نکولوگوں نے شورکیالکیلو ال چو رک دک ے د ىك ہے دوسرکی رات 
انس نے زک 3 اوا كرو یر وه ایک پدکارگورت کے باه میں الل لوكول نے شور یز بدكاركارت 
کو زکو 5 دے دب یگئی رک رات ال نے يمر ركو اداکی نووم اتاق ے بالدار سك اہی بی کٹ 
ولس ذه توریب اک کرو بالرارلودس‌ری »نش نے روف ای کا شمراداکیا اورشن مر مال 
لود اہ گرا نے خواب میں ديكا لايك کین وال ا ےکپنا کمن چو رک و جوزلا ة وینو موتا ےک 
دو ری سے از جا اور بدکا رگورت بدکارگیا سے از جا ے کون ے لوگ جور ىك وج ے 
اس یبنلا ہول اور مالمدارکو شاب برا ساس ہو جات ےک مالمدارآدٹی ال ط رع گے ے زکو قد اک رتا ے وہ 
ھی ای رح زکو د ےکک جاسة- 0 
1 کر مصارف زک و 
ملک :شر لی فک اس روات سےمعلوم وتا ےک عر ف كلق ہواور کو اوا بھی ہج رگا 
أو اسل جا ا »رما رآ ان عبت ںار فک بہت كيدا ے ,ایک عد ی ثكامفهوم ےک الہ 
تعاس زکو کا راز يت اش برس رن تی فا ,چا سورت 
وہک الآ یت رارف »تال نےکیا اورفو کید سف رماي زک عبلا 
روس سيفو :ادا جو لكات سین متا رتش جا تا سے دہ مالک کے الک حصي د 
اش تما ی ک ان ہے تاج يبا ة كالب دار لكو يخال ركنا یا ےک جرحم زا بسكل 
کرجا ہے پیا کات تھا ہا ا كريب ور روا روز ل کر _زي يس بک 
7 یب کا اسان س كال نے اک مال تلالد اراک زسداری عير هبر كردا- 


تک 


mm اكت هم‎ E EE E E E E n mm E لئے شی ہو‎ - 


ای مت کی طرف رآ كع ل اشارہ سي هلاسغ صدقا واه ”سان جا سل اورابرا 
به بالل رواب انآ مسار ]تقر ئتفصي ل کی سا عدت فا 


فقاو رین 


ہے دولفظ ہیں اور دونو لک ہوم اتا ے ایک ز راز وتات ہوتا ے اوردوسرا چکگ ان 
ہوتاے زکوو 2 برو مان عونا شس کے يال ضرورت اصلیہ سے فار اتتامال 
نيس جرک ایک نصا بک تن جاۓ ‏ خلا وہ سام س2 باون نول جا ند یا اس کی بت کے باب ال 
كا لكش سے ۔ضرورے بت اصلے یا ل ہرود جز اقل ےک کان تفاظت جان یا تفا تآ برو سے ہو 
نی زندہو دست > ےکھانا ينا مکان او رکیز امو جور موسوارى کے کھوڑ اون وموجور ہواو رحن لت 
مان وآ بول مرول وق ر مو ل | ضرورت اصلے یس دائل ہے ا یف سےصعلوم ہوتا ےکی 
وئیء وگ یک یآ رو تیر مقر کی ایا ءضرور يات اصليه سے فار ہیں لپا قش کے يال ف وى موجود 
ے اورا یکی قدت ب جار سے زیادہ زوش صاحب نصاب الک دينا ال 
عا دہ يده گور تتکیوں نہ ہواوریا سے وم بھوکا کیوں نہ ہو۔ نی چا س هکم ييل ف وى فروشت 
کر کے رق کھانے يركو وصو ل کرای کر يل »بات یاد ر کہ ہرصاحب یی ہآ دی کے یش 
کاجوسامان ہوا سے ده ان کےض روریات اعصلیہ می وال ہے پھر بھی یدرک كسسوارق کے ے 
چرگا ڑی مون ے ده جا سے پا که کول ہواس رل ووضرورت سی شس دال ہے جم 
جو جزتهارت کے لے ہواس میں زک ق داجب ہو ہا صدقات واجی شش سے غی رس مود يناجا تال 
سے بال صرقات لیر اور ہر بد سے میں تر کل سهد ( غلا صاز موار فال رآ نص۳۹۹) 

والعاملین علیها 

زوق وصرقات :کش راوراموال سام کے اکٹ اہر نے بک رک مقر سے عاك ہیں وہ لاف 
بتک ر کے ہی ںعحن تک یکرت ہی لآ سه ہا ےکاخ چ کر تے ہیں اس ےرل مہ رونے ابي 
اوو كرتن الست زکو ‏ کے اموال سے لگ کو جا مقر ارد یاے .مر عا لل لوگ چوک علوم تکی طرف سے 
مقر ہو کے ہیں ت لوك خود و دفقراء کے ولل ہن جاتے ہیں ب لوگ جب مال اھ ش نے لیے 
یکو ن بتک ما لچ کیا اب ا نکو جو مت ما ےکوی یقت بی زک 3 سكل سے جک یہ 


0 نظات ۲۳۴ مارک ركوج 
و قرا ءل طرف سے ے۔ 
ینیم کس براہ یا درس مکو این را نو سکیا باعتا كول یاف ام 
وکل ہیں پلک اصحاب اموا ل کے ويل ہہو تے و ل جبکک حرا اتا اللو کک یں می 27 
رک وني بوك گر لگ دوسا ل کک ای ا لواپے بال کے3 الدادکے ذ سا بج بل کی 
نيلوك ايناتن المت اس كو ےس نے حلت ہیں برا نکو ستل واو غير دز تست اداکرناضروری 
ے اورجو ین زک ةك کو برچ استعا لكر ہیں ا کون زک ود ال ہے تی عبرالتار اير 
رسٹ سے بیلو کک طور سی ب رکا ال رک ہیں بااسی رح درف ادا یں جو پتالوں, 
نارکا پر زکو ۃ کی تم لگاتے یں یاد وق جب مود وی رر ےک تیر اٹ هل ہا کن ے 
تو پت لوں اور دم رفا ھی اداروں می نکی ےا یک ے جہاں امیراورف ربکا اتیاز ىال 
مؤلفة القلوب 
الم ترا دش دم ول کو کی رداق رانک دل جل 
+وور دوگ اسلام یس دا مون کے بحداسلام سے فرشا يا از سی شارت پات ہا یہ 
سل اس تاد اقلوب شفک دق رصان ہوتے رن 
کے مره ہو ےکا خطره ہوتا ایا شرار کا خطره تا ین بحب ال تالف اسلا م کون عط کیب 
اعرف احاف کے ملک کے مطاب قفتم کی اب یف قلب سرت یکو زکو تین وى باق > 
نض دوس رے لا واورفتہاء نے تا لی ف قلب کےا معر کوک م اور سلم کے لئ عام مانا ہے او شور 
4 


وفى الرقاب 
رقاب رق كل مت > كرد نک و کے رف عام یل امل سے راکب نام ہے[ کا 
ل ی زارگردو لكان کول مت کج با 
اب وہ موسپیا لسکا سا ربدت نے ا كو مال كوج اس راردا 
کہ اس كل لوغ لص ہو۔ مل آب كد ج دلاتاہو ل كرابق وظیرہ يلوس میں حض غریب لول 
120111 
ان لوو ںو زک ۃدیکر کیا جاے نے بذ اث اب ہوگاان سض ریش کے لوک صرف جا شاد 


على خطبات ۳۹۵ مصارف زلو؟ 


ہو نے لوست سال ےئل مل بڑےہوئے ہیں - با تاد ہے کاپ مھا یوکرو 
نہیں دی جاگ سارک سکمکودی اک 


والغارمین 

ام کرک ہیں جور کے بوچ قت رب ليا ہوخواہ قر ا سک ضرويات زندگی 
گی وج سے ان بآ یڑام یا اس نے یکیاضمانت می جاوالن اما کیا ہو الى حادشنا اكبال مرش 
لد بگمیا ہو ان تھا مسورتوں عل وٹ تارم مقر اوري ون ے اسکو کو7 اد سےدیاجائۓ ل 
وہ ری کے بد ےس ےآ اد وجا سے پا نا چائ کا موں قرض ليغ وا و رون دی باحق ے ای 
رجات بڑھانے کے لے خو تی رض قن زكر ويل 

وفی سبیل الله 

“تك ا کی داه شل -ال تابن اور ین اسلا مکی سربلترى کے لئے مرا کار زا رل 
فاد وا غاز يان اسلا راد میں ءث رن وحد یٹ سور کے سےمعلوم ہوتا ےک لفط نی 
کیل الل کے استعال کے تن موا ہیں۔ 

(ا )ملق وین میں استعال موا مور نكري عل ٥۵‏ قامات پر اف یگموم سکس استمال 
بہواےءعا مك مطلب یہ کرد بن الام کے ب رال اور رج یکو اف شال ےکی نا شب کے 
لئ ا کون صکر ناپ نیس موک لا از روز ر کو ۃءذکوت ولغ ہ چہاداور ورتا م کیو ںکوشائل 
4 ابص ون عَنْ سَبِيْلٍ الله اٹک رام رو ہیں یرک نا کشا كم کے سا تخاس 
کل 

(۴) اس لفن کا دوسا اتال اط ے مت صرف اد !دیق رآ نکر ٹیس بلقت اس 
اهوم لئ ۳۷٣‏ ہار استعوال ہوا ہے تیه لون تسل انش يهابرون فی یل ایت وره ویره 
ال اطلا یکو ججباد کے علا وه دوسرے ا حكاءات يبل استھا لک نایا ا گرم گر ریف موی کے مت رارف 
ےجس سے بہت سے مفاسدروما ہوجاتے ہیں لا یل الشدك ام ریش رکو مکی طرف فقهاء 
یہن اشا ہکیا ےب ان جم رش افق اوردیرفقہاء نے بھی الوا طور پر ذک رکیا ہے۔ 

زابر اللو نے متقالا تکوٹر ہے میں اس پر ایک سل مقا لکلا نو تك چند عبارا ت کا 
اردور چم ملا اع انم کی ق٦‏ ص۱۵۱بر زایا ےکی شيل الل سے مراد جباد ے - 


۳۹۹ مار ركوج 


1 
۵ 


م ہل ۔ 
ساح نے ہے سے تس ۰ ۳ ۳ ہے 
( ےا کش یس ۱۸۹ )علا لو وی امو حم 6 ؟ اي فر ماتے لک« ے ااب ا لم نے 


متدرا الي زی نی یل اد تپا دراو رعا معن جا" ۔ للم بھی زد 
2 سو معن استتعال موا اورابل شرا نز ریب تقيقت شرعيه ونی موی ہے جاب ال انبم 
اور پادرالی الزن ہو بل ايك لفظ جوش یمن رہم می شہور ہوا سے تجو ڈکرلغو ی معن کی طرف باه 
كيريد ضرورت ے ترق شق تن کے اراد مک نے ےر کا ہو۔ 

علا این تر ال باری ي٦كض٢۲‏ رات ب سک این طال کل الت کا اطلاٹی عام 
طا حات کیا انك كينا بيك ب سيان جب یکیل او کل لق طور پآ اس هبل سیل 
اش سے مراد اد ليا تیاور ے امام جرک باب ا ال امعد میس لفت تال الف كوعا مسق میں 
استعا لکیا ے علا مرا ءلن مر نے ا كل طرف اشا هكيا س ےک رای لتکو عا مم پوم میں لن ےکر نماز ونر 
میں استوا كياح اسان دافم ہوگا ا کا نموم جهادکی ہے۔ 

اسان لو في سیل اللہ "کرت رات بل»ءاسه از مق کل ات 
مراد ادابم بخارق نے اس لف گی لكوم ل استتا کیا اہن یرما سے ہی لكماءان جوز کل نے 
راي ”لفل اون جب فک بولا ہا ےتال سے جہادمرادوناے۔ (ماباریج+ضص٣٣)‏ 

ابن دش العیدنے فر مایا ےک عرف عام یش یل ان" كالفيظ چاو استعال ہہوتا کناب 
لو وش صاحب براي نے لفط فی ل الث ی تشر کی كال ےم رادا زک اورعجايد بین ہیں او رر 
فياك ئ لمم عن وطاق ین جب رمق استعال ہو ہا ےا سے ادن 
اورتازل مراد مو ے »رما ال کے بحر ميخ کوجان لین جا س کر زگ 3 کے مصارف جیا 
ایک ا عرف جہاد اہین ہیں۔ ایکا جا سے چٹ ر موا کچھ و كر پا ممو ات می لتضور 
رس ا علیہ یلم نے چند مکی جوا یں فر ای ہیں دہ جہادی سمو تع عل ہیں ۔ اب ار رادم 
سے جولوک مساچداوریرار کی یر میں یا رکو تن کے مصارف میں نی رغ بو زكوة دحية یں ا 
رات ثبل لات ہیں دہ اس تی رمقل ين کے ال زو رال ببت دلفظ فی ی لله 
ارآ نکر می نتر کآیا تیک ارگ ی کیا ے کے انف یل 
لاس اطا ن رآ نكري شس فسات مد ہر گیا ہے جوا لور ہلفاق کے اه 


على خطبات ۳۹ مصارف زود 


بن السبيل 

سا تاکن مات خیم یب ےا 
ا یکو زک ری مق سب يكل یم کے مصارف ہیں اس مم ایک اصولی با 7 م سکن 
لوگوں کے سا تج 7 پ کا اصول وفرور] کا رشت ہو ا نکوآپ زک 3 یس دے که هب 
برداداءدادق 03 وا يتف -ای‌طرر با وج م تا کک ان بر زکو ونب لق - ل سے ٢ن‏ بھی 
یرہ اد گے ا نکو کوج دی باق سے بی طرح جن دو رمیوں کے مع تپ لکل مخ چٹ 
عو لاورمقادا بت ایگ مول وه ایک دوسر ےلو زکو 3 یں د ے کح ہیں جب ميال بیو یآ یضام وم و 
کون مفادات ایک ہیں۔ اللہ تھی تمل يج راس كل شای فر ماكر اس برك لكر سف کی تفش 
خطافرمائۓے۔آممین 


رکو ست نے زوق تن آسالی سے 
تم لان ہو كي اتراز مراف ے؟ 
حر قرے ۳ ووات خا ے 
م کو اسلاف سے کیا نبت روعال سے 
وه زاف يل معزز الى صلان بو كر 
اور تم خوار ہوۓے رگ رآل و کر 


على خطيات ۸ کب طا لک اميت 


۳ جب ۶9۹۵۱۵۵۱۳۱۱ ین جا که ال د کرای 


موصوع 
كسب ملا لک انميت 
ارت الر 2 
قال الله تعلی يَا الرّسُلُ کون توملا صالخا (مؤمون 
۳ يتفبرو!! تم علال و یرولب س ےکھایاکرواد تی کا مكياكرة'- 
وقال الله تعالى ديا یل کرابمافی لاض حَلالاطيبا 4 (بقرۃ۸٦۱)‏ 
*-کوا! زی نکی جزول شس ے جوعلال دی یه يزيل ہیں انی سکھا - 
وقال عليه السلامرطلَب كسب الْحَلال فَرِيْصَة بَعَْالمَرِيْضَةِ) «مشكوة) 
تضوراکر پیل ال علیہ مل نے فر ساي كسب علا لك لش وج دی رذگ کے بآ ف ريه ۔ 
قال عليه السلام لب الا اجب علی کل مُسلٰم. «ترغيب وترهيب جاص ۵۲۹ 
حضو ر اکر کی الم فیطل رز کلب ہرسلمان پرواجب هد 
يَحْجُوْنَ بِالْمَالِالْذِىْيَجَمَعُوْلَةُ 
خر )لی لت الق المحرم 
لوک ببيت ابش یفکا امام ال سےا ے ہیں بسن نا از ری شاج 
مسا ےل الل إل کل طيْبَة 
تساکل ينج یت له مَبروْرٍ 
اتال رف لزه ارط الل ما لول فر ست میں بت ری فکاہر ع نل اتب 
رم عاض رمین!! 
انال زگ بڑے پڑےدہ اون پتل ےا ایکا كا عبادل يباو دوس بسا 
مواشرل وسا لاس تن انا نکی تدل يرددجي زيل عاوک تيل - (١)معاءلانت )٣(‏ اورعبادات 
یکن اننا نک کے لے وكوف اورسعیار ہے ووا کی ز ند یکا سے س6 
کی ديانت داماختءاا شرفت ومتتاخت ای عرزت ونست»ال کے ور وخاوت الا کےا 


على خطرات _  _‏ ۳۹۹ سب حلا لک ایت 
وطہارت تال کے تسد دخیات ال کر وعدادوت اورا شک زا اورز ال تکاانرازہ وچا تا > 
- چنا يدولا یت ولق كل اورک رات وف یکا اکل معیار معاعلات بی سح قا ہوتا ے۔ 

اما رتست النہ علیہ ےک نے ليها لآب ن ےکک یکا ہی تصنيف ف مائی م كي أي ے 
توف مںپ یکول یکت بای ؟ آپ نے فر کس نےتصوف می امسر كناب الیو ی 
»کال دہ ہہوتا ہے جس کے بای معاطلات صاف اوردرست مول اوراس کے درست رکفت کے 
لئے می نے ريد وفروضت كت سال كع إل اك مثا لآب بون كيال كاي كار ےا 
س اگ رآپ خالل پٹرول ذا لک چا کےتذ وہ چک کن ا ىكذ ىكيل اک رپ يال اور 
برس لوط پٹرول ڈالد باتو کاڈ ی پان لك لئس حدك يكذ مذ اورڈزڈز کے سات مول ساف ت کل 
:نص رارك ساتھ چ ےکی أل اىطرر انا نكاببيث اناف مك ار کے ےکی ہے اب اگ راب 
سن اس تق میں حلا ل رز الاو سم ای نار يل لے ل سمت اوردر ست صورت اخیارکر ےکا 
اراس بلقل و کت میس اه اعمال اوراجیگے اغلا کا مارهب کمن اس پیٹ ملاک رآ ب نے 
ترام ما کرد يا ورام اپنے احساسات وخيالات اپنے عتا روا ال سجن اغات وکر دارم کی رخ کے 
جاۓ غلط ر کل يذ كا ارم کے لامر وہک 7 ادنم بوكر ورام جاه ويرياد 
211111010111112 
چا ےل ال ےکا م خون باه اورقون انان تام ركول اورشر ال لجا چا اس لك 
يال سے نےکر و تک اورولوں سے نےکر دراو يكنم کے تام صے متاشر ہوجاتے ہیں کی 
ترام مال يبيث س لاس ارتا ہے جس کی وجہ سے نل برق مم نا اتستتركات پرا تا ےچناس ے 
ای کے ز مانے میس بسک سر ل الج دویوڑھو كود يا ج نکی كلصيل امس عاج 4 
اوردولوں ہز رای بعصا كشك ل سمل اسهم تش ريف لات تھے ووو ل بوڈ ے بقاعت کے انتظا رع 
جك تےک کی بات پرایک بوذت نے دوسرے وذ مارامہرے استتادنے ديكا وف رمانے کک ہے 
عا ج لوڈ کب مار نے کے قائل ہیں بی کت ا ن کک ان کے یں یس ایک ترام ایس جواندر 
نارای ہے سمامریی كا اترام دعلا لكل ای شش عل يال پا کے 
توا 


حطرت مولا ال لا رها ےک ال فيص دكناه کے اسباب ترام اورن پاک زرا > 


“ی خطيات ا کس ھا 1 انیت 
یں فص اہ رخ اتکی وج سے ہوتے لل ہی كداسلام نے لالز دا 

اورا كو ضر اروب ستاك انان ترام ور اور ورک سے فا چا تز دد مرول كتقو ال 
اورسورخوری سے ب جا +زت سكاس اور ت ےکھا سے ال کے سا سب لاس ورز 
خیروں سے چٹ ين تك ربك كلو ایس لس كسب علال کے رآ ن وحدبیث کے جندارشادات 


كسب عا ل رآ وعد کی دوق مل 
ق رآ نک رکم هن جا میا علا لکھا كا زک رآ یا تاک طررح طیب اورطبيا تك اٹہ تھا ی نے کرو 
فايطا لكها کمن ےکی ت خیب دک ہے اورترام سے تیک كيدفر ]ل سے سور ةبقر یآ یات 
۰۱۷۸۰۵ ۲۱۷ ل علا ل طیب ار پا یه جزدل سکس فكلا ف اورترام ونا ياك چوں 
سے جتنا بکرم ےکی کیرک سے -سور3 اعراف میس تلن تاد تو لسن علا ل كما او راسقعا لک ۓ 
کی ترغیب دک سے -سورة انغا لکی دوا تون بی اٹہ تیا نے حلا لکھانے اورعلال مسر ہونے کر 
اور کم ديا اس سور پل یش رذق علال عط اکر کو اش تقال نے ااینا اصانع عط راردا 
ج سرت کل می دوا جوں مس رز قی علا لکول تاف نے بطوراحمان دک کیا سب اوراس رلک 
عم دی ہے ۔سورۃ بی مرت مل ایی طال وطی بکاذکرآیاے۔ 
سورت طلا یں ایک یی رز علا لکھان ےکا عم دیاے سور مر منون یس ناکرا مکوطال 
ھانے اد تکام ن هک شتا ن عم ديا ہے سور سب ل ا لکھانے اوزشکر الا ےکم واا 
ست سور ة اف یس الث تھا نے انا نرثواصور تکل اوررز قی ملا ل دہ ےکا بطو راحران وا ام ذکرفر ا 
تہ را رع تال نے سور 3 جسسائية بل انان فضيلت اورا کور زق علا لک نھ یک کر ورال 
ست يلا یب اورطديات کے توا سل سے چن رآ جو لك نشا ندت ىكل ال کے ملاو سب علال اوررزل 
ال توان ست مز یی دوش ہیں نس سے اندازہ ہوا جا ےک تال | ں رز 
7 کیا اہی اھ سے در نفرت ہے ۔ا نآ ون کت ام ئل 
.تھا میس بالات ہیں ۔ علا م ای نيرس چنداقتا مات بش فرت ہں۔ 
را یل خلاصہ ب کہ جو زین شس پیداہوتاے اس میں ےکی نشف وش لا 
وطیب :دشل دول نف ترا ہویم رداراو خیزیر ارف اکن زد اور نی ام حا ساس می ںان 


> 
کات لتخي كاه :5 ۲ جار لکی امد 
ا ا وج مر ريو دعا تی س تس سس 


اسب ری رت سم اش (تےخزرسرس 
ا مز یراس لک صد ق مقبوگل ہو سن کی بل رط ےک با علا ىال کا ودرا کال اورثر 
كال ت ہوا ورای سےالچھی ری راد سر + یب ز2 00 ےے۵) 

ام ث كح لالظ تال ات ليب اريت هر سے زی 
الرطيب دعلا ل »دوه تک یٹ وتام ججز سح بتر نوي عن بيب لکواخارکرے 
ناراب چک طرف خواودود کش یزیا بوسر الال نظ ہاتھاۓ_ (ی‌۱۵) 

یک ادر مقا معطا مز ی دعت ہیں تسب رول سکن میں بی يدك ربكعلا كما 
طال راہ سے تی ککام سب ملق جا تی ہے جنا تام تنبت شیوگ اوراستنقا مت کے سا تم اكل 
علال صرت متا ل اور نیک اعمال وا بت اورا ئی امو كوا ىك کی رر ے رے۔ (ص۳۹۰) 

رل آیات قرات حل بعدرزق علال کے خان چنداحاد ی گی اعت فر بل - 

حضو ر اکر می ارڈ علیہ 7 نے فر مایا "افضل الافمَالِ الْكسْبٌ من الْحَلال “ 

طال‌طر بك ے روز ی دا تام ل میس ضا ل >- 

ایک اورعدييث دلج طلْب الخلال ل وَاجبٌ غلی کل مُسلم“ 

طال روز ی تا كنا مر مان پرواجب ے۔ 

بغار ی شرف کا ایک عدیت ںآ یا > لا رت یوم ریسکا 
کےکھانے سے بیترت دا و دیسا مس اتد س ےک اک رکھاتے 
جے۔ 

خضرت اس رواييت سك کر الد علیہ یلم نے فر مایا بے شک و وکھانا سب سے 
داور بتر ے جوقم نے اہ ےکا ےکھاا ے ایک مد یٹ عل سک کی نے وضو انر علیہ یلم سے 
اف تک اکب ے ال زربي رمعا لکیاے؟ آ نے ف رما اک ہنی کتجارت اوراپنے باج ھک کا ۔ 

تر نی شری فک ایک حد یٹ یس آیا ‏ ےک بكرم سل اش علیہ وم نے فر مایا بے شک ده 
کھا نا سب هرهس جوم نے اپ كال سےکھایا۔ 

اک ردایت میں س ےک ضرت نے فياك جر عطال ما ارف ہکا سے اه 
دول يل ےک یاس اس سے ا لسکا مت موی ایک اورعدیث دل ے 


ی خطبات r‏ سب علا لک ای 
حضو ر اکر ی الوم کے فر ایکا شس کے لئے بش تاره رک باد ہے ی مکی ی زومر 
اورا یکا ا كبر واو را واورلوگ ال کے شر فوت وما مون موں - 

ترا مایت ےک خضرت نے ارشا دفر ایا جوش مجنت وعردورٹی سس قيال 
كرشا م کر ےتڑا یکی وو شا مغر تک شام مول ۔دیھی تم عاردایت ‏ ےک ہآ تحضر نے 
راي کاٹ رتنا اس باتكو پیش فرب ںکراپنے بند ےکوکسب طلا ل شلک ہواد کے _ 
جرال ارت یں ایک مرف عد یٹ ےک ہآخضرت مکی الیو نے فر ای اک بے شیک 
اش تی ىكب علال ٹیس شر وراورکا یر سادا کووب رکتاے - امام غ ای ےکا س ےک هرت 
رف رو "سیب فان جار کی تروش رزق علا لك طلب سے ے تمت موکرد بط 
(احياءالعلوم یالع۵) 
ایک اورعدیٹ لس کر خض رست صل الث علیے ۶کم نے فر میکح تنص نے حلا كوا 
اوسنت کے مطا ال لکیااوروگ الک ایز اال سسكفوظ ر ےوہ جمنت یں راقل ہوگیا_ 
حفر ت سمو حضو ر کرم کی ارڈ علیہ یلم سے درو اس تک یکا سے دعا هک الال 
تیاب الدگوات بنا سے حضو ر ارم اٹہ صلی وم نے فر ای کہا سے سعدابنا کھا نکی اورعلال باو 

و ساب الرعاموچاکگے_ (قرج) 
نوٹ: ره احاد یٹ ينها طور رتیت مولا نا تمل نخان صاح بک یکا باسلا م وررشورت مل حال 
سسا درن إل - 

کنزل العمال ی لیک عد یٹ ےک ضور سی ال علیہ وم فر با یمان کے لے 
سب سے پاکیزواورعلا لکلا کاو حص ہے جوائل کے را بتها ل مال يمست سے اسل ہوجاے۔ 
اد وال هد یٹ مل ال با تك ضرق ےک رسب ے فض کال جیا کے را تکفا 
مال شدہ ال تست ہے خلا كاك ال باتفا سے شاه ارت اللہ علیہ ن تی یکا 

ل ود ةبقر ٢۳ے‏ يعاس کا كسب موا لابتکسب 

وغ وه يل وال شر وال سے کوت صد یٹ شی آ یا کہ ا ی اراک پش د با گی اور له 


جہادک يديا > 


على خطبات rer‏ كسب طا لك :میت 


3 یا ہکرام کے 2 

خضرت آرم علیہ السلا م کا يش زرا عت تھا ہنعظرت ‏ وع علیہ السلا م کا پیش ہ حجار اور باق كانتها 
خضرت ادر علیہ السلا م درز ی کا كا مکی اکر ست تھے بحرت ہو علیہ الام خضرت صا عار السلا م 
دونو نک پیش كبارت نا حر ابرا قیم عل السلا مکا پش اور ذ ر لیمیا شق باڑ وی رت شوب علیہ 
السلا کا ذر بی میا پر ول کے پا سے سے تھااسی طر كاذ ر رمعا حظررت موی علیہ السلا م کا کی تھا 
عضرت لوط علیہ السلا مكار لیر معا غل ت پا رت اک وعلی السلا مکش ز نا ۓےکا تھا رت 
یمان عل السلا م وکر یال بنا اک رکا کے هرت مر سول اللہ ام لبي مکی ار و کاڈ ر لج مھا 
چجہادتھا۔ ال تی نے1 خضرت سی الیل علیہ ول مکی روز یکو پ کے نیز و کےا رلا اچنا بآ خر 
دل دورش لآ سيكو يرو ىعطا 1 1 ( زین یا ۳۳۵) 
<کایت ا : حر سعد ہن معا یک نت سه الي تھے بتضورکی یوم نآب کے يتحو ںکو بو سم 
دي تا چا چ ایک مرف را حدیٹ یل ےک تحضورسلی اي یلم نے ححضرت سعد بن معا سے مص ف کیا 
ان کے تھوں عیفر آ پ سی اق علیہ یلم نے ا لک وجردر یاف فر ال ینس پرانہوں نے 
جواب دیا کول کے لے راو ركسل چلاتا ہوں ال سرو رکا نات مکی اللہ علیہ وم نے ان کے 
پاتھو ںوچو م لیا اورفر ا اکا نیو لآواشتتال دوست ركنا .> ( مسو تی )٣٣‏ 
رکاعت٢‏ :امام انی امام اتب نع کے پل مان ہے امام ام نے بات اجتمام سے بی سے 
كنا تيا کر وایا اورک کہ ب می انيم استا کات سے رو كار ہی ںی و ہی زكار ہیں »ی ن ےکھا وای اور 
ال کا لوا براۓ نم زر ركحوايا ابا شا نے خو بکھا نا هايا او رع تک ما لمل وق كز ارا۔ نی نے 
اپ سکب اک ےکسا بی زگار ے؟ ال نے یک کھانا بهت ز یاد اي دسا ہک ہنی یش پگ اور کی 
ماز کے لے وضو دكي ا کیرک الک جرا ہڈا سے ۔دد یافت پ امام شاق نے جواب دیلک یکھانا 
علال وطيب تی جس میں علا لکی ورایت گی ل نے ای لے زياد ایا اورا یک وج سے رات کر 
ال فورکرتے ہو سے کی ادرخشاء کے وضو سے کی نمازپڑھمیا۔امام ام نے ف مایا اس جن ان 
لوأو كراش ےکی اوركام کے ے پیدافرمایاے۔(ت تیر لٰ) 
نکا یت٣‏ :دب بند ل پراش شاہ ى ايض تھا جوگماس چ کر ی کا ا تھا بك يد کرد بر 
کے يدر ى راو تک اکر تھا ,رت علا کرام ا نی کی ممموی سے وکا رک کرتے تے 


ی خطبات 00 
کیک یی رتكا کمک و نیت بای ی - 
رتیل طا ل کیا ےک فق عطاغر ماے۔آ ین يارب امین 
شور ہے ہوگے دي ے ملان نا پور 
ہم کج ہیں کہ ب یکہیں سم موجور 
ص میس م ہو نصاری تو تمان س بور 
ہے مان سے میں دک کر شرا بود 
بول توس رگ ہو مرزا بھی ہو اقخان می ہو 
2 بھی به ہو چاو تو سلبان بھی ہو 
رآ ن‌وحرمثٹ ۱ 
یت الصّلوةُفََِرُوافى رض ارام قصل ال سرد دح 
لِرَجَعَلنَاَهَارَمَعَاشَاك صررةناتيت/ 
ننک کم فی الْآرْضٍ رَجَعَللَكُمفَيھَانعایش گنر ردب ١‏ » 
تج رٌالصّدُوْق لین معْالبييْنَوَالصَديْقيْنَ والشهداء اسان 
۱ عن المع زج الله تغالی نه نان صلی الله عليه َمل 
طلب الحلال فرضة برض ۱ (رواہ الطبرانی والبيهقى فضائل تجارت ص ۲۳) 


er‏ سب علا لک رد 
کے 


کی خطرات ۳۰۵ 


۳ 
کپ سد م د و ۔ سپ ترامع عي 
وو کک 5 3 


۹ بحب 3892/۳۲۳۱۴ 


هاما مع سير لد 29 وراك 


موصوع 
سب مرا مکی ای 
مم القرالرصن ارم 
۳ لکم ینم بلاطل ان تَكونَ تاره عن تراض کم # 
”این الوا ےکا یف وه کال ۱ یس شل کر ےک ھار بو لك نرق e)‏ 
وقال عليه السلام ایدخل الْحَنَة جَسَدٌ غذی بالعرام" 
خضرت ی ابت ع لے کم سے فر می جو راما لحت پلا موه بجنت میں راق لیس ہوگا_( توح ) 
يحون لد لبون تبون 
خراف‌االسی الت الْعَيْقِالْمْحَرَم 
لے بيت انفش تک ا سح 7 ل سس ہیں جوانوں نے نا جا زط ر سے سای 
يقل هلال 
مساکل من خسج سب نله 4 مور 
رم عاضر إن !! 
اش تیا نے انمافو لكوايك ددس مکرنے سے واه ارگ ایم يلاو لض 
جاع یقہ سے کی کا ا لكها سے تراما يبيث ٹس کپ هآ د یکاپ دز جا تا کرای 
سے خون بے اورظن کم کی تنام رگوں اورشریانوں یل دوڑتاسے اکر یہ خون حرام ال سے 
نا ہو اکتا مق کان سے ما خر و كااثر دبا اوردل ی تا سجاوردل ود ما جب فاسد 
ہمذ ورام جاه ہوجا ےگا کی وج سکلت نے علا لکھانے اورترام سے تچ کت کیرک 
سےا رن شی مک یک یآ يات یل مال 7 ام ےکا كا سے کیا یا ے اعاد یٹ مق دسل الام 
اک ےا تکل ے۔ 
رومیت می جواجمال ربكي ا کرو فته ءكرام نے فت کروی ےکک 
فق جرف كل اوروفعا کی كل میں ہارے پا سے دوث رآن وعدي ٹک تر اورضاحت ی كول ا 5 


یات کرام ی 
نہیں ے ترا م کا سے قرآن نے بھی مع کیا سے عدييث یں بھی ور ہے فقد بھی اس 
کہا کہ اگیا سے اورم دن رات اک شل گے ہو سے ہی ںکھا لی دج یں مرے اڈارے تیار 
وكورام ال من هل اگر چم يداد ےگا مز ہآ یمن وو اجام کے اتبا سے تا ہکن دک ای 
داش بكرا سف والاخودیی دوز رع شل اس تک ورپ اول ول یدسا ۳ 9 

ليا اما کر وه بت بات مرک بان چا تا ہے 

مزه بے عد 2 آجا سج كر ايمان جاناہے 
آ جک لآب رمي لک ری وک التضادى نظام ايك طرز يكل رہاے اور جوط رز وط ر یہ 
يارت ب ل كفاركا سے وتى طرز بيد ادنو ںکا سے مالائ سلمانوں کے يال ایا اسلا لادی 
نام موجود ےک سم نون کے جوع ران ہیں كر سامون کے یت اورکارند ے ہیں انہوں ےکی 
رو لک كيال ہمارے اس ملک کے لئ اسلا طر زک ارت اویش تک ضرورت ے بلج 
نا متها تکفا نے و کیا سے مسلمافوں نکن ون ا لوقيو لکرلیا ے اہر پاست ککفا ر نے 
اس نظا مكوجماد سے ۓےکوگی اسلا اصولول پر مع تن سکیا ہے بل سرام چلایا ےک سے 
بھی ا ہور ہے ہیں مارا مك کچھ تاه مود پاچ ادر تار مرا نگ تا ہو كك ذل ساملا کو 
رج تست وق تک اسلا ی ذمردارگی ہے -حعررت رف رو نے جا جروں کے 2 ایک 
ركارى فر مان جار کیا تھا کہ جوتا جر اسلا اصولول کے مطا ا خر بد وف روخ کل جاتنا کی دکان بند 
كردق جا ا سح مکی یچ وگول نے اسلا ى طرز پش ید وفروشت کے مہا ليك اور ہردکائن ایگ 
اسلای دسر گیا دنک تآ ی اوردنيا کی تدا لبمار ےک رانوں ےآ ر جک لعوا رازم 
رات ہڈا دیاس ےک جونض وپ ھک نا چا ہے دمآ ز ادوخ رٹڈار ے اس طرح ماش روج کیا اورلوگ 

جامموك_ 

مار ے ملک کے یکو لک لو رام سور برعل دبا اور لورامعاشره بالواسطه يا بلاواسط انا 
يكوك دہ ے سورتوری میں لات سك ب لكرنك اکاوٹ کے علاوہ تما مکاروپار درف ۳اا 
كاد باد ےکرنٹ می ليق صرف ما ل ککوسو نیس ديا جاجاود شآ کے ما ل ککاپی ےپ رک یکی ورش لاطا 
شش لگار تا ان رل ای كل مار لومت وت 0 سے مالائ سودق 1 رور ے کات 
کے لے ریت کے با كل نظاممعیشت اورقا دی معائى نظام موجود سے صرف ا كوورست 


لی‌خطبات ں۳ کس بحا مکی چای 

کت مس يبت ا ان صل 
کت پورانظام علا كال کا بن سک ہے مود ىكاروباراورمضار بت ل فرق صرف اتا کسوس 
یبندھار تا چا یه تسان خط ر یں ہو لی ال لاک مب 
ا کک کال ادا كالؤد ا ا کپ رمال شس کان مضا ر بت ل "شم بسالغزم وراج 
بالصْمَان 0 اورت سمال نانك زد اک ع تمان 
لطر فين شريك بو تک کا مال تاج #فتتجارت میس لگا دیا بت چک منت ے اور ما ک کا مال > 
ین مناف ہگ کھتنا ی باعتا ے او اگ رو ان رات ماک طرف مت 
رال ما لکی طرف توج ہوا اسلام شل بجا مب كما ک کا مال جرعالت ل پا ر ے اورا كو 
مرف متا ع بی ماتا ےنقصا ن کا مدکی یھنا ہی نہ بذ می وج ےک یقرت شک رن یک مناخ وصول 
كرنا شسود 

میٹ سے "کل رض جم اروا “لی برقرض تروش وم بین حول 
۱ روح له وود ل ےگروکی لو جرا نکی طرف سم ھن کے پا گی ہا 
ے وور کے وصول لئ ايل وش یق ہوتا ے اور ینان اول کے ے ہوتا سحا كدي ون ب ھگ 
نہ جاۓ با بها كك صورت می کر وی ھی مول سے قرض کے تصو لكا نظام ہو کے لپ روک چ 
سے ور و2 L1‏ روما صم لکنا ترام اورسود سے جوا لام تام ہے۔ ا آ پوصرف انا عرش 
Iss‏ ارک مار دل ودمارغ بل علالی وا مك مينر باق تي صرف انتا اتانس پ کی 
ال سے اور یرام ے اور لدان کے 2ضروری س ےک علا لوكا اورترام سے اباب ے 
ر کے کے ا ل مات اورمالطا ت درف ور وشت اوركار وبا ہیں شس میں ہم جتلائیں اوراس کے 
طال ورام" یں لت اور یھ سو یچ اقا كران دعا تك برست ا بھی 
آنے وا ے۔ 

مار ال علیہ لم فرب )کرای زمائدالیا آ جا رتمک رال 
رک قال جو بل اس نے وص لکیا ے آي وه طال ے سے يا ترام سے ہآ كل وی دور سے یں 
اتا پچ ہی كال هاچ س ہہ رک طا ل سے چیا ۶م سے چ شا کے ایآ رل 
ہا كراب س ہین ہوا ے اورفرالس جأبان یھ با الین ليون ےرل سے ال دا 


خطبات بس لل لس بای 

اور رکه اون کے ڈ الہ سے ددرت پر وفروض تگردیتاے دہ من ديك مسر اور جوج 
رف وض تکرتاے اور رل اکر دو ما کرای جانا ہے مہ پو راکاد ہار لطا سج یس شس تم سب جر 
ہیں ا كو اسلا ى اصولوں کے مط نکر ناكول مشک لگ تصرف ات اک نا سك جہاں سے مال نر یا 
سے وبال ينوكل ولا اما رهق رکر ےتا کہ دوخ یداہوامال ده نے او ربچ عض مس نے لے اس 
کے اهربا کسی اور فر وض تکردےءات کی بات سے لوراكاروبارطال #وجا تین ال کون 
اوركيول اظيا اکر ےگا جب من می علال ورام یکی نه ہو ۔ اک ط رفاست یروف روضت ۳ 
کل فگلول ے ما لآ جا اورم ا كواستعا لكرسة ہیں-۔ 

ا بآپ چند یو عات کے نام یں برا ہپ نام ہی لک کر نک رآپ تران ہو جا مس کدی 
کیا جز ے مالک برق ید وفروض تک وی صورٹس ہیں نسل میں چم روزمره سل كاروبار یں مصروف 
كار ول (ایسع مزابنه »بیع منابذه»بیع ملامسه بيع بالرقم»بیع کالئی بالکالئی “بيع 
بالخرص بيع محاقله»بیع بشرط خیارالعیب »بیع بشرط خيارالرؤ يةءبيع اقاله»بيع 
مرابحه بيع توليه بيع ثنياءبيع مناجشہءبیع تصريه »بيع حاضر لبادءبيع العربان»بیع 
المضطرببيع الغرر »بيع شركة الصنائع »بیع شركة الوجوهءبيع الرهن »بیع السلم »بیع 

ف اوربیع المعاوهة -يراارا م کے دعا ت جس می بض ہا تاو راکنا چا ئز یرتم اکل 
الل ے با آشنا ہیں ھا لاہ ہم لمان تا جر ہیں اسلا م کا وک جاور يجرت ہے مال سے۔ بی ان ےآخ مھ 
کے ددن مو ںکی تر كرتا مول تاک ہآ پکومعلوم ہوا هک وال ہم اس میس لورت ہیں اورغلطيان 
کرد ہے ہیں۔ خلا بح صرف قود کے بد لت دک سوداسج تت سونے کے بر نے سونایا اندها کے 
بد نے چاندی الوٹڈں کے پر لورت ال مل ادها ر رام ے لام ناچا سے اور برابر برا م۸ 
نیت ورهار نہب دودنہسودئکاردبار جن جاۓےگا۔ اب وگل و نج ہم ایک دوسرے 
سكلا بيه لیت د سے دسج ہیں اوراس میں ےو سٹاو يهاس فر کرت ہیں یا وت اکا دج 
یش سو دلوت ل نین واد روهز اده لت یں یہ اع سود سے با کوفوٹف وی اورک اک شا مھا 
دج یسب ام ارم لکا خی کیل كت ہیں ا کر بیع معاومه اوربیع بالسنین اک کا 
یکی سال کے لئ ایک بار کا وداک ریا کہ بارع سا ب بارغ امامت کچ 
دے دو یہنا جات ہے ادال کے جام کر نے کا آسان‌ط ریت يك برسال ج بک ل خمودار باس 


على خطبات ۳ کب ام کی ای 
سا اس ریو يل اہ رہونے سے بحل اکر ودا وکیا من ےک یی بی نآ اورا ے 
دوسرےآدٹ یکا يبي اس طررح مفت می سکھالیا۔ اكثر و شت ربا نا تک مال اک طر شیک سم پر باذ ارک 
آ سے اور ہم دک فال سے نيد سے ہیں او رکا کے ہیں عالاکک دہ بارع ی سے دک کک غا رط یق سے 
پچ ہواہے اس كح اك يمان ہب ےگا یا كذ ےگا ؟ ایمان بل فور ۓےگا یا تار بک یآ ت ےگا ؟ اس پور نام 
کودرس تكسف كل ذم دار توصت وقت پا مول ے کین علومت اسلا ی تو ہو؟ اس رح اط 
راوس یں بھی ڈبودیااورخو وی ثوب گے اورک بھی جاى کے و باذ بہت کیا ۔علا لكك ركان 
ات مشكل ہ وکیا جتن ا کہا کے پا کار كارت نلا لکرنا مكل موتا سے 


ال ترام ےن جنراحادييث 

وعن جابر رضی الله عنه قال قال رسول الله صلی الله عليه وسلم لا یل 
اج لحم نبت من السخت ول لحم بك ین السخت فلا لى به (رواه احمد) 
حضو ر اکر متسل لیر یلم رای كرض سگوش تک نش ودف رام مال سے مول ہے وه نت مم رل 
جا ےگااورترام مال سے يبداشر هگوشت ے٦‏ مگ می مناسب ہے۔ ایک عد ييث می تور اکر سل 
ال علیہ ول مکاارشاد س ےکآ دی ورج تقو ی تک ال وف تلد اجب ت کک دہ ای طا لآ رک 
نکر ےت سے ام میں پڑنے کا خطرہ و ایک اورحدیث ل حضو رارم 1 اش دم ے اراد 
را 2 2 نے دی درم ای کی ڑا يد اورال يل ایک ورتم حرا مك ]بنجب تك وہ 
كران وش مرکا سکاو از شتا کے ہا ولو ۔ ایک دوسرکی عدييث تس 
حضو ر اکر لی اللہ علیہ وم را اک جو گناہ اورنا چا طر لے سے ال كاتا بغ روہ ال سے 
ع زیو ںکی اھ ادرا > باراه خدال ا لژ کے رسب امت کے رو تم ع کر کے ال أرق 
سیت روز غ میں ژالا جا ےگا (م وہٹریں) 

طراٰی کی ایک رايت مم سكا خضرت ا علیہ م نے فر ايم ہے اس ذا تک ل 
تبش ترت می صرق ہان ے جو دی تا ملاس پیٹ یل ڈال ديا سال کے ها لل دفو لا 
کول تی یکل قو لک ہوا اور جوم ترام مال سے پل باس آگ اس کے لئے بر سے ۔ ایک 
مرت می تضور اکر صلی اد علیہ وس مک شاد عالی سک ج بآ دئی ترام ال کے ذر لیر کو ہا سے 


فا ۳ اس 
اورسواری بر وار وکر لی کہتا ےل فرشت رآ سان ےکنا كرتم اليك مقبول ہے نس یک ولج 
تی ران شا مک سے تراغ چرام تی راج نا ول اور حصییت ے۔ 

ایک یل صد یٹ میں حضو راک ر مکی ال علیہ دیلم نے طا كما ےکمانے اور کر نے کاو 
کیا اور یھر ایک ا ےن شک ذکرفرمایا کل نے طویل س کیا موفيار الود اور اکندهپال ہو رولوں 
پاتھو ںکو عا نکی طرف اما كرا ررح دعاما کیام وکا ےر سےا ب !اير ےرب !! لوال 
کات یا ترام سے مولب کی ترا مکاہواورترام مال سے ا لک پرورش مول ہوا ا کی ہے دعا يكرقول 
ہوگی ؟؟ فرت مان جب سے ردایت پک ضر ت ی اللعلی یلم نے فر اي کت مت کے روز 
کش ول نها سبل بل ےک جب تک ال سے چا رسوالو ںکاجواب نلیا جا ۔(ا )انی 
رم فا ۹( ۳ جوا یک سل مم ب رباك ۶( ۳) لکہاں سےکماپاتھا اورک ہا قر کی 
( )ال لکیاے؟ 
جات |: يك ادص طا کے وی ان کے پا ایک دار ییالال 
کک اور خی کوصد كردس نے جواب ديا کہ ال علال ہنا 1 کرو رح ہیں نج 
ہوگا -دنيادار نے اصراركيا و گا یہاں ےک کر را حت 22 وس سا کر لے اسے دے 
دودنیادارجب گلا ساحن سے ایک نایا نآب جوت یکی تھا وریا کی تھا اس دنیادار نے رت ال 
کورے ری درل + اک صرق ابی جل جل اكياددم. سے دان الى مالمدا رکا ای نا کت رگ هجوت 
انا کہ ہا کش رات ی نے هآ ووو جل سے می نے خوب شراب لا 
اوررتای کے بال مكل را تگزارری ۔دیادارنے تا زو کے پا ںآیا ار ی 
اراس اپ جیب سے ایک درب رارق راس مس که لے بوركم ا ںکودے 
دتا دیداد سے سا ست ات شل ایک سفيد پل خوش پر شاک خوش سر شرا کال 
کیا عم کے ماب دما نکد ے رتش ایک مان مكان سے جلدی جلد گرا 
دک کے پچ کی ای نے دک ماک ےکن ایک مروت بے مالدارنے ا 
دس یقت ال اپیاس برچ ہوک سے مان 
تھے میس نے سردا ركبو یاقا كا سکوکھالیش ین جب آپ نے درم و ےوش ےگ 
یگ د كاب میرے ماو كنا عا لال ہے۔ (مرقات شرع کر 


بات ۳۷ سب امک جای 
ا ریت ابو رصع لی کے غلام نے ایک دفع ہآ پکومشتتہ ما لکا ایی لت کی معلوم 
ہو رحضرت ابوگ رد بی ”علق بس الكل ڈالی کہ تے ہوجا ےکر تال یٹ سے ایک لے 
کہاں ام سکم تھا لبذ آ پ نے پیٹ كج ريال لاور و تمسق كذ مر سے :لاك نع سکیا 
کرحفرت! ایک اہ کے لے ان لیف انھار ہے ہ؟فر ایا اکر میرک جان کے سا تح با لت یش کی ری 
ان کرو حضو ر اکر کی ال علیہ یلم نے فا اک جو دن ال تام سے پور پا اس کے ےگ 
ی ہبتر سے شک خو ف لان بمو اك يلقل بد نكا حصان بن جا 2 (مکلوج) 
چایت۳! يلض نے حفرتگرفاروق* کوصدتہ کے اونڈ لکادددھ يلايايخة ‏ بعدآپ 
کرد ھکال ےآیاھاءا نٹ ناوتان سے وہاں کے لووں نے که 
سعد اتا :حطر تگرفا رو “نے ميل پات ڈ الا اورسا رر ےکا ہار کے قر مایا( موٗطا) 
کات ! حفر ت مولن لتقو ب تارذ ایتا یی تسنیا ےک ایی رس كم به 
وس ای میں سے ایک لژو کیال لكاي راکمه پار پار صو سآ حا ر ہتات کے 
لتوز پار رکو خوبصورتعورت لل او ربل ال سح يع موجا ول ب كنت پر يشان #وااورغداغداكر کے 
ايك اوبعدا كام زائل موا (مستعبديت حصیتخ) 
تا تان ول یسرم خر نکیل کدنا باداوراً غ گی یدیل 
با ےکوی رول كما تین رام فذاست اٹ هآ پکو سا" یس اٹہ تیال ہمارکی تفت فا ل - 
آمین یا رب العلمین 
حيررى ضرب ے نہ دولك عا سے 
تم کواسلاف سے گیا لست روعا ی ے 
وم معزز تھے زان میں صطالن ہو كر 
اور تم خوار ہویۓے تارك فرآل مو کر 
بے خب ام لا اھا كن نے 
بات وبزى ۳ 9 وہ ہناگ یکس نے 


ے وین والا عتاروں کی گزرگاہوں کا 
لیخ اقا کی دنا میں زک نہ سك 
نس نے سرن گا شعاعوں کو كرفار کیا 
تند کی شب ریک کر کر نہ کرک 
اعاريث 
َال َسْوْلُ الله صَلى الله یه رس وال تفس مُحمیبیده إن الد فیک 
للم حرام فى جوف مایق من عم رين وما (الترغيب والترهیب ۲۰۵/۳ 
قال سول الله ی الله عليه وَسلَم معت لحم ین شخب فالا الى به. 
(حواله بالا) 
قال سول الله یاهع سم من رى تا بعشرة کرام وَفيْهِ رم 
بن حرام مق اله 5ه صلوة مادم عل لترغیب والترهيب ۰۸/۳ ۲) 


عي ذطبات هلك تام من ىصو رس 


شبان ۳۹۱(٢‏ 9ٹ مید جا مہ وش رو رای 
موضوع : 
جام ا نکی صورش 
مم افر رصن ار 3 

راکو هوكم بتکم يال ودارا به لى الشکم تاغل رقن 

مال اس بالاثم وانتم عون ربقره۱۸۸) 
اورا بل شل ایک دوس رس کال تام طور برم کی ڈاور ات ها میک با هکرس سےلوگوں کے 
اک حص كناد ےکھا جا و ناگم سان ر ے۲ ۱ 

وقال عليه السلام ..."نی وَلْمر ی فى ار 

ضور فرمایارشوت لین دالا اورد یے والادوول دوز ىكل ؤا سا سس 

وقال عليه السلام مَنْعَشَتَافَلیْس متا 

ور کرم رای یں وع رکرو یاو سلاو سس 

رما ان 

شتا نے انسانو ںکوعلا لکھانے علا اگم ےکنا نک تا یکن دگی 
قباس سلما نک ريسو چنا جا كرود نسل ت ےکو تيد ل اش ا ےآیاددعطا لکا ہے یا رام 
اخ تا کلمت کے دن ا سکول برا ہو شتا تنام عون ماد ہیں اوررسول 
للظم تام مدرک قرع مادک فا کرام علا ل اورترام کے ااا تکووا ع طور یر 
نما تال رانا نکنل رى سے ا لس برآ د جا متام قوس 
لات کے ول مش میں ترام خود نود پیٹ لال ا تر جا بک ال تھالی نے من کے ماس 
ر ركيب پھر کے بعد من کے 2 رال کی جارد لوار ہے برا کے بعال ےل 
نے کے لے سمل کے پر بوڈ لکرل کو پیٹ كف جنا جانا و ای کا متا کی بل 
ماياو کے سات ای ترام خورق رآ یم اورف مان نيو کو ڑج ہے اورردعال صد بدک کے ماه 


2 گاھب وی قزري حاورا ملق ہی تک بنا اے .یا س انما نكا تد او رد کال 


ھی خطبات ۳۳ ۳ 
رکه در دارہے۔ ل رل ردول 

شتا کسی نے برق اس علق ع لل ات راک کل قا مت کے دن ےکہد ےکر 
میور تمعن وتا میرک فصو رت ؟ 

روت 

(۱)علام سیل مان ند وی نے سرت یج ما ے رشو تک | اک ںا رف سے 
رشوت کے مہہ راو س ال فرش اور تن مطال کو و راک نے کیل سی ذ کی اختیاراورکار 
دار کو بھورے اور فیلات مواق کرانے. 

(۴ یہر نے ری فک ے:الْهُوَة ایی لال حق او لاخقاق باطل . 

شوت دو یز ے جک تن کے بط لکر نے مال نات لرن غاب یکر نے کے لے دی چا 
(۳) یف نے رشو تك ت ریف اس ططر کل ۔رشوت دہ ہز ہے جوا سين تق یس فيصل لمث کے لے یا 
انی موا نکر نے کے سے کی ها ونر کو کیا جاے ان سار تتربفا تک ہوم قريب تر جب ایک 
کی .لاه رشوت لے ارد سے کو اماد یا ہے اوررشوت کے ما وود نا جا مور کی کے ال 
7 د باس ےکوترا خر اردیاے .ایک عد یٹ ٹیل ے۔ 
"یل ال امرع ال بطیب خاطر من“ 

ال عد یٹ کا متا وج جورشوت کے تا مور ساعلاوودكر نام نورق 
بھی شا ی سے لكات دكره نآ يند وكرو نک رعا ل اسلام ٹس رش تا کگھا ناجرم سے جوماشرکو 
ےکھوکھ كرح ہے اود برقا وان چا سب ده اسلا ہو یا اسلا ہو ہر ای کو ے ال او رل ينان > 
“للم میس رشو تک اه كيل جالى ہے ا قوم شل رشت اتح وا سب رورت او رگردارکا جاذہ 
كل ما اےاورمعاش هگا فر وک لطر سل رشوت مدلوت ہو جا جا سے او هراجا س ایی کشا 
ورین ےار تک گناس نیرز نکی تمت با اورقو مومت وق تك اکا 
میں بلا ہو چا ی چا رئاہ ہف بھی شف لآ ں کیک م کرخور هکرس ویر 

مت رشت اور رآ نكر 
سور ہکی جوآیت شل نے ھی ہے ا سکیف رم مفس رین ا سط رح تب 


على خطبات O‏ ترا ماد نکی صو رس 
(۱) ابو حا نے كريط لحا سك لفظ ا یلو ٹمھسوٹ جوا کا ج نکی شیر تی ورشوت نوک اجرت 
ور ره یک سك لی ےکی ريدت نے اماز ست ںوی( ان سب کوشا ل اوران سب يرعاول ے )- 
)۲( شیر رو العالی س ال سے ادام اور برده چمزهراد ل سے جس کے لک امات 
راجت ةلد ے۔ 
(0) تخیر ری مس ہے دہ ما ل بھی باعل ک ےم ںآ جوا ما کک سے ا کی خیش دی 
افیا لکیاجاے وت ڈو ابھ ایی اخکام 4 مر اڈ کنیس میں ڈول 
ڈالتااد چنا ہے ۔ عامس رین نے ا لکورشوت س ےکنا قرارديا ے چائ اوحيان زط س کھت 
ال ی بے + )کح کو مال رشوت ہدوت اکہ وو ہار ے موان فص کرد .ادن عط زر ماتے 
إل <كا م ی رشوت لے نشل زیادہبدنام ہی کر ات تقو ظا ر کے وہ ہم ہیں - 
(r)‏ لیر رارک عل ہے شی برے حا مرکو مال رشوت کےطور برمت دو۔ 
(۵) عبد الراجروري پات ہیں اسلا یس کا نام ہونااوراسلام كسار عقوا ين دلوا ء 
وهراری کانافز مون ور بای جز رن بي رک صرف ال آمت ارآ گل درآیہ ہو جاۓے 
وجو _ لم كوول على كاغزات بول وال موه عاف نامو ل»اأكارول جب دارو لكل رورت 
ساسا تال کا مکی دصت می نز را فول مق ڈالیوں شات رار ووتو کاو جو وین با یدرے۔ 
(تقیر اجرگ رعا ٣ے‏ ) 
رمت رشوت اوراحاد مث 
قال عليه السلا ل لہ على یی ی 
تضو لی الل علیہ ہکم فیرشت اوردیے وال پاشگاعنت ہو۔ ‏ (امنحبان) 
قال عليه السلام" لعَنَ الله ألأكل رطعم الرّسُوَة“ 
ضور س الم فارتعا نے رشوتکھانے اورکھلا نے وال عضت فر ال سج( كثز ارال ) 
ایک اورعد یف ٹل ےک تضویسلی اند للم نے شوت دیع اور لمث وانے اور جن بج 
ل وا لر اوردلال سبخ سب اعت فر ا ہے ایب اورعد یٹ س حضو رس اش عل وم نے رماي كم 
+ لام یں ورل جاۓ ال رب ژ الا ہا ے بش ت ىوست لورى قو مکو بزل بناكركافر 


ص“یخطبات ا تر هنال رش 
اق ا مکی بیت ورعب ان »مادقا ے۔ 

قال عليه السلام "الراشی والمرتشی فى النار“ 

حضوسل الل علی لم نے فر مایا رشو ت د سے اور لیے دالا دوف ںکودوذ نعل الاجا ۓگا۔ 

ان اعاد یٹ دام سح رشو تک مت خب وا موی اب ا نكامو نوسلك جورشوت کے 


ال عذاب للا ول - 
كل بيس 


يأكنتان یش بت وکا افتارات حاصل ہیں اورقا نو نکی دست يلوك معاشرل اوسا 
7 ول ےم لسن شرت ہیں اور تم كرك کے ںان ان لوول نے قانون اکتا نرف اس 
تک بیان ليا ےک ا رتشا کک ےت کرکو نکت ناکما جا ہے لبذ ا بگوام سکس قانو نکی 
رال نس ينك کرای ہے نو ل کے يال جيل ذياده ہودہزیادہآسالی سے قانون ياكتا نکب 
بذ احص هلإلل ےش يكنا ے ادر یبال روزم رہ کی ہوتا ےی ےآ دی جب کی لوک راچا ہا اذ يكل 
یک کل سکودیتا ے او یرہ اکر لکرتا ے قا نون اک ہے کت ب للحا كوك ووک 
باس سے پاتھو ں یک نا کے الال سےگھی زیادہ يبي ہوتا سے وه اورے لیس اکن 
اورتھان کو یھ تب چنا نہ اویش قاس ےش رم کے عو بک که موت ہہ اب جرائم بش 
رادي إلى عناق ےا ے دہ جا مکا ا رہاب قانولى تن کے کر تے ہیں ۔ رفاک 
کے سك بوتس ےےگناوافراولوگ ر ارك کے ان سے مر یروتس وصو ل کر کے ر اک لی ہیں۔ 

ففنیات لتر تماما( وت الى بل بعت بر حلت ہیں اگ رکوئی تو کر کے نات کے 
کاردا رک چو لایر تپ لاس اس پر ئس ال کر یلک دين >' 
جی بکتر سے اکرو شرپ کو ترد ےکر انا كارو بارجلا تے ہیں فاشی کے ار اقل یسک 
ل جلت ہیں ثيل کے اندر جاگ فاص پل یک تو بل جس ہوتے ہیں اورو وس ے٦‏ وى جاگ 
نہیں تی سے ولک ہب سےزیادہ جرائم چ ش وجا ے یں جيلول یل ہوکا نے در ے ہوتے ٹیا 
ےب ہک رای یں دس ہیں ۔ ونا لاي هاس قال ولوك تاتون سے كَل سن © اه 
یھ عدجا ةينر شاد کر دزی رک جا ست ہیں با ےگا ہے ہش لیا وی ہیآ نا ئگ 


ل سس سا 602 ترا آم نك صورص 
سن وروي اا سوز بے ضا کیا سب پش سکم ی ارال ل جو جل یں و سے 
ارات سے ال ہو سے ل الق جات وہاں من بسانت 
7 ایک کی آ دق وک کھ تا ےتکن اک ملا یش جب بکترم پا ےا ان 
کی شہ وگ روز وکھا نا شرو کرد .ال ن کو کرو ےک یکو کرجا ےت لیس کے 
إل رود جرال دوذ مکی اک کر نے وال بجر ہوا ہے باترپ كنول > 
ادف لاد جرا رکا ہوتا ہے یہ بال خر جمسارارشوت اورنا جا زط ريقو سے حاص لکیا جا ا ے_ 
لاس مم اتکی ہو تے میں کان دہ شایدایک ارس ایک خوش تس تآدی ہوگا۔ مرگرس 
کے بلك جا ہے ادرا ایک بی کاو مک هلو لک پا ےآ کارا نكف کیا اج ہے 
ماراتصان رشو تكاس پھر نس کے بعد عدالتوں تک وكلاء اور الا اقا نام مق مات 
رش تک ناد ٹا سے ہیں پل لوا ہیا دو کہتٹھوڑے ہوتے ہیں - 

ایک فلوم دق چا یاپ با ل ہو کا ہوتاہے جب پیت در كرا ف جا ما ےتا مقلوم 
سے لاس منہ ما کے يه وصو لكر کے بعد ر لوث ور کر .یقت لوي ےکلہ نس خر 
اود لا کین مکرنے ارت اتف دسي ولا در نکر هیا كل لول کی بركنوالى چون تحر موق 
ال لے رشورت ستالی اوريرعتوال عکومت کے ہرشع میس دائل ہو چا > او ريج رکا رک اک رول کے 
دا دک درل خی سک رکی ادا ےگ بركنوالن اران ولاز د نکی لیف م ]جات إل - 


ر یلو کال 

یلاب کےا گر شا رآپ دیاھیس کے وی سک بڑے سے بڑے اضر ےکی ھکر ے 
ںکدام بے چا د ےڈ ب لكراي و ےکرک وصو لكر تے ہیں اور لوك اضرا ن بالا ار لگ بے 
اک خورشر ير لی ہیں اور ركد عام بيك ہیں چگ کے لئ جو فى صاحبا نآ سة لاور پیٹ 
ام ری رفص کر ۓ وال جوافسران »و ہیں شوت اور برعنوال کے کت یلو گکیا ب 
5 ست ہیں؟ اس لو توت کے با جود ل مس پالی اوردگرضروریات L1‏ كل فقران ر ہتاے 
"انا ھارکی رقوبات کے وصو لکر نے کے باوجو دكار يل خسار هب اس عق نا لفت بعالت دن 
سک الا کی سے مم سکو برعو امول نے جا لديا >- 


على خطبات ۳۸ ترا م آم نک صصورخل 
- اپور ٹکالظام 

می رس کا رک شاپور ٹ نظام میں أي نیال مول ہیں ونم اور كدق اور جود کے زم ے 
سآ نے ہیں ک لک او اف ےزیو ہکر ار صو لکا مقر رش م یز باه رکٹ اودنگی والوں نےزیادہ 
رگا ايك ناج ارپا جوا عديث سدق تآ تا ہے "مین غشنافليس هنا “تنلل 
یس وک دیا وہ ہم میں ےنیس ہے اورایک جد یٹ یس ہ ےک سی سلها نكا یراس کے شرل کے 
رب يك ناحلا لئس ان سرکاری رورت نظام میس ونی ہو کے ہیں دہ هنم ایک ایک 
سالک ڈرائورڈیوئٹی سے نی حاضرر باه وراک اضر رشو تک ياد 3 ےاورو هریش يك 
آر زا وصولکرجا بت سب اورآڑی روت یل ديا >_اورجولاز دان دول 7 ہیں دہگاڑیی کے 

زو یس چور یکا دنر شر 7 رت چاو رورش ترآ مپورت خسا ربا ے۔ 


تیل ورت 


خ شاي لومت رشوت گناد ودع لآل ے پیل حدے پازکا 7 517 كل ےہول ے 
جب وہ رای وچا کے ہیں أ يرك سك اندرا لل لیا نکش یراج تا اورفو رن کے ساس ادارول > 
كج وزكر تومت پر قضہ جمالیاچاتا ےو لومت خودرشوت کی یادیروجودیسآئی مود« دمر ےاراروںل 
سے رشو کیا ناک مک بی کے بللا نقلي دل رل رشوت کے زور هر هکل لیا ج. 

0 
7 

کلم بتاكم سالک بنوانیاں اال رتك جک سکیا نکر مکل ج 
نل سافرۃ سکم کے ساس 5 اھت یں کن ا نکی فريادكوان سے گا ,کورتان کے ول > 
نما کی کی الى ہیں اور بإزارول س کر یلام 1 ال یم عبر ے اورز اورات كك 
وس وس بال کے جو هک نکر پل نيلا کیا چاج اوراس کے فروشت > 
لئ ٹکیا کی دا يل قا مکی چان ہیں جوسب سک سا سے ے۔ 


دیگراوارے 


یں تاغدل سي را ےب فو یں یرپسا مش > 


على نطبات ۳14 7را رام آ مان سور 
سج = کچ ہے کے دي_ ۳0 جج کر e‏ ہج جو ہي 155۳ _۔ 

زور بردا دس اور سك جاتے ول را ت اورعبده جا گی رشو ت اتم بوط س سای 
گی رشت سے دا 2 اوھ رشو تک کیا یں ہیں ہیں ناش فپ چا 


ولو وددی 
امالك بض راع رشوت کے اس وول دی پڑکی ہوتے ہیں شای زيما ركم 
جاپان کال كرد يا اهدده کرات ما یکی بن موق ے ی ای نام ی ال ن دیاءیامال ل لاو كر 
فل مال فروضتكياء يناب تول م لكشك »یسب ورمن غشضافلیسس منا دید 
مدا ہیں اک ط رر کی بت سل مار اسلا يرل ما من اور جنده ٹل ورگ ری سب من 
غشنافلیس هنا یش دائل ہیں اورناجا ئزوترا مآ مر نکی صو رس ہیں ال برعت کے ہا لاوس جج 
كيرت ی اورطرارات پر چ ھاو ےسب :اجا صو رل ہیں - 


سرکاری مپتال 
رکا ری منيتشال يب بمرردادارول میس بھی ڈ اکر ول نے خرمت کی جار تکاپاز ارگ رمک ررکھا 
حرشل دواوں روم ہیں اور روت رشوت ورشت دارکی اورسفاش کے ز راح نہ سك ودبت 
مريش سس رم جات ول اورا ن6 او دا کل »وتا فلا پوت يناف هرذ اکر زمنہ 
ا رل ر ایرث تیا رک کے ر ے ہیں اوراكر بن با كارف دوالك وش كل دده 
ٹر پکرجاتے تلا دی يسركارق تيقال نل برس نام عفر مول سے ال عورا ن زک ول 
کچ کلینیک کا نے اور یکی اليثوز مو کے نل برد بال با یل 2 ہیں اورس رکا ری ووا و لگوگ 
ار طرف ھلک لکوت كر ے جنک ڈ اک رک شنت کے اےقو کا جرد ہناد ه- 
اڈ سفارت حاثم 
سفارت نما نک یبھی کک ککا دوہ کک وتو مکی تيك تا اور ہنا کا من دارموما > فرت 


فاندی ےآ وی انراز ا کاس ےک ہلک وقو مکی اندرو عالت کی ايل دنا کلف ککوں کے 
تلف سفارت الول سے مر ور اسف پرواسطہ پڑ ا کان ہم نے الكلينكاسفارت نان جو وکیا تو ہم 


ھی خطبات ۳۳ 7را اسن سورت 
شک ریسفت فا بل مزب غات يوك وال ایک مسافرجب بات و 
سے ولوک ا لاد نے ہیں رام پاچ جب فارم کرانے کے لے مساف رجا جا یقاس سے 

فارم کرانے سے پیل ٹیس 2 ہیں اوروہا ںکھاہوا ہوا ےکر شد وك وائی نی کی جاۓے 
گرم مسافروں سے اٹھارہسولی با ےن سے کین یاچار دبنگ فی جا سے اور 
نان وی کے نام سے تار در دو بادہ بلا کے ہیں انر ویوش ڈور اذكاربا س لوبق جالى بل لكل 
ان ”لیس و اور رکچ نيلك تلد مآ پکووی: مال د ہے ہیں الى ررح چنا نک 
اک بد نے رواک لوکوں سے بحارى دق م ها کی چان یں ی( ادا« هكرصر یکراپ 
شل روزانہ ياكتال قوم الین کی ای ایک لاو سے یادہ رت تھی لبق ہے اصول تو ےک جب 
تم اپنے ملک کاو یز وبل د سے ہوا انكل ل الا نکورے دو۔ شل اکتا كام سح درقوامت 
متا ہو ںک راپ دا ماوت مار سے بيجا یں القت الى ام کا سے بحاس اورطال رز سے بل 


الفا أن 

واعظ قوم گی وه پت خال نہ ری 
رق شی د ری شط تال د ری 
ده کل رم اذان رو لال نہ ری 
فلغ ره گیا لقن زا مه ری 
میب مریم ال ہیں کر نمازی نہ رے 
جن وہ صاحب اوصاف زی نے رب 

حد بث 

ال سول الله صلی الل ليه سل من لیس 

ل سول الله صلی الله سل لمکروالجداعفی الار. 


(الترغیب والترهیب ج٣ص‏ ۳۳ ۲) 
وغل مر بن العاص قال سجغث سول الله صلی الله َي وسم ولاب 
َم يهر فيه از جنشت ومین قزم هرهم ل لاجد يغب 


(مشكوة ص ۳۱۳) 


على نطبات mm‏ روما نیت شت مالا مال امت 

,شمان 9۵۱۳۱۷ بمروققاء ينها مخ مد بن روڈ اب 
موضوع 
دوعا یتست الا مال امت 
مم اشا ارم 

ان اآغطیتاک الکو رفصل لرک ژانعرهاشاننک رالات (سورة کوٹ 

"كك نے وی دی سے ماپ ھاپ رب کے لئے اترا لگ جتن سے 

وک 

وقال عليه السلام ان لكل سىء بَهَاء وَبَهَاء ای الْقَرَآنُ . 

ہرز کے ے ایک ز ینت ہولی سے اورم ری امت کے مق نک رکز ینت 

گرم شين ! 

ر ا تیک 9 0 أت 
موز كاذك ہے دوم ری س "كاذك اورت ری می ایت کا زک »انا جائح صورت 
ے جودا دا تک مادک اوردوعالی رکا کی بشارت اوراعلان بقل ہے ضعلا نے اسے مف 
سورت تر اردیاے من اکر کے بال یگ سورت ے سور تکا غلا ص ال طرر س گرا یرت 
با کہ رہم نے رو رکذ سے نوا زاس الصا وانعا مك تق س ےک ہآ کت سے 
ايل ب ما کر ین بر عبادت ل آپ بڑھ جد ھکرحصہ ںاوراک طرح آپ قران 

لیا مس می ال عبادت قوب رت کل ال سے دا خرت مش لامعا یآپ پ کے نا مکورشن 
کر ےگا ہاقی ان امورل اور ین الام کے باد می جآ پک تالش تك ےگا اعداءت ر ےکا وہ 
مکنا ےنام نان اوركنا مده جا ۓگا۔ 

فيرش 

علا عا سور تکوش تشر ییات میں فر مات ہیں کوڑ تق خی كر کے ہیں ن بہت 
ذیادہ لا اورتری» يبال ال سکیا چزمراد ے؟ اھ رای سالتخا نس اقوال زک کے 
اه ما لکوت دک سپ كال لفت كتحت یں ہ رک دی دیع وت اور ومخنو تس 


روما شمیت ے ااا ا ںاہ 


على خطبات 
ئل یں جو رپ یی رض ےہ سے سےال 
وت موی داك نام سے سلانوں مل شور ہے اورشس کے يال ےآ مس اش 
مب ام کرو رل سی راب رما سح (خیرخ ٰیص۸۰۰۷) 

تیا نکی اور یگ تاس رکے مطاب نكو سك تن یاد ہر ہیں اول شروو م وگو 
ورن مرو کو امفہوم یاد ہو ہے اور کرک هوم یاد ار سب مس سدق تآ فرت 
کا وس کو جج یآ جا ے اور کا شک جو رآ نک ری ی صورت بل مو جود سب میگ دال ے اورا 
ورتم ھلا ميا بھی اس یس دغل ہیں ۔ 

خاتم النبيي: تی رکش ری صورت میں 

ن کشر اودبت بھلائیوں ل سے چند چیپ کے ساس دکھناچابتاہوں سب سے اول 
تو حضور کرم لی لش علیہ و مکی زات با کات اور پکی توت عام اور وت س کار تا ۳ 
يل ا بڑےرسو لکاائتی بن ل کےامتی نے کے کے ایام کرام متا سکیس امیس تال 
نے مفت بل يردولت عطاف ريال خط رہ کی عل السلا نتاس ا کی دعاو کی وہ ےآ ول 
زندداٹھال یا یرو تیا مت کرب دٹیائی اترک رتحضوراکرم کےامتی بی ےکا شرف مالک بس گے۔ 

شتا حضو را کرم کی الفا علیہ وم ے وعد وف مایا ےک قیامت کے روز نع کرد 
کے راضشی ہوجا حور نے فر ابا ےم داش اس وق ت کک رال ہو لک ج بکک می راایک ا 
ھی دوذ رن مل باق ر ےکور نے ایک حد مث مل ارش دف رمي رده امت برك رگ راوس بوک 52 
ل ادا ءل می مول درمیان شل مہدکی ہواور فشک ہو۔ 

حضو رارم ی گی هکل ست ال نتھالی نے ال ام كوا يوه ولتوان نتو ں »رقتو اور بل 

ےا ازا جس سےسابقہ اتی مالا مال نل :شلا سابقہامتوں پ ہیی یک لی سكسواوضوبنا ےک 

کو صور تی یی ال اس تاوائ تدان نے می کے ذرجے سے طہارت و لکر نہ ےکی سوات سے 
نوز شق م )- 

ود ول پہ یرگ اک بقاعت کے انراز توبس ہوک ی اور برع کی صرف مسوم ما 
اک ادن ےک صت پا ای كال راشقا 
امت ری ل صاجہا الف ال تیت ےتضوراکر مکی برک سح لیا ط رح ا نکی ایک مگ یکوای ک 


١ 


لوي rrr‏ رو عاضیت سے الا مال امت 
9 کی شی سے ادا تک تار کی کو یکنا وکا کا بکمتا تع ال کے دروا سم 
ور وضو ۳ لوده ہوتااے ورس زا ےک ااا ہے کن تو ھونے بجا ات 
زوم انورو کی جلا استعا لکرنا ان ترام کیاکی تھا الى کوش استعا لکرناان کے لئے 
میا اد اسل شد هال“ م ٹسل نشور تحاي سارک جز تضوراكر مکی 
ری امت رتوم کے لے علال قراء ی وسا و ول بولك فلطيال معاف رارق 
تی رب اس امت کے لے یرک رک صورن میں فورض و رارم بوت کےتماممکمالا کل کرو ے 
سمل امت مرو راوآ رک ام یٹ مو ےکا یم شرف حاصل يا وی انا رالات ای امت 
لہ کے کی اودكا سف نيش پا مس ری كرا ام ترا شالت ممتانت اتتا ل اوروقارکی 
یر ےتا ہابت امتوں م بطوركواوضقرركرليا اور رور ہک حضو ررم کواپتی اصت پرگواہنادیاگیا۔ 
اوگ دیک جعلناکم ار وُسَطَالتَكونَا شهداء علی الناس وَیکن الَسُرْلَ 
يم شهیدا 4 (بقره ۱۳۳) : 
ری جا رآن شل لب کم 
سط ی امت ے تر لغ 


یت ار رام رک رک ورت يل 

ای نیرک رک صورت میں اللہ تیا نے بیت الد ا حرام اس اص وع کیا سامت ل او انیا 
ام نکب سرت تنسب اقب بيت ریق گر جاتيم ات يهالملا کے 
ارو ماني كرام بھی بيت ار يار تك چرس ادا کے لك نلك یت سے ان کے 

كيت للقدل تو مق رتھابیت اوق .و کار فش عضو اکر ماوع اکیااورآپ 
کل پک ام یکلا راز ےک بیت ار معا جبکک میت اتم 
میتی اس ک نک اضر یں اس ببق ہیں جوش قل 
تسس ازل مول متفه موا 
شی از ل مول یں بيت الثد ب لجرا اسورے جوال تخا کاداہنا ہے ے بض تج راس ولو جما > 
الا تال کے اھک ہر لی ےن چ تور رم مبار تن ایک ال 


على خطبات ۳۴٣م‏ دوعا بیت ے الا ال امرس 
ملا سے اا وزو اول الله سف من لا سے ال مقا مك بن بد لیا ہے و 
ال ایبان باه نكرشفا ع تک نے والا كن جا جاب اال كريب لتر سے ال و رارم اور 
سكا کرام کےعلادوکروڑوں ال دالوں نے بي ككردعا لگ در الروقظ ررد سے تلا رال 
نے دعا یں قبول فا ہیں۔ 
رای کےا کے کی میت الت ہکا در داز ہے جب ا کی چوکت پر ایک ملا نآ تا ے اور 
تقال ےکم کے ررواز ے سرك كرتيل اور تن مالک لتا ےا وہ غر کی دوات سے بلا ال 
مہا تا ے پل ری مکاحصہ سے جوف رول کے لے تال نے ببیت ال س ےکوی طور رها على 
بسچ كنا ملا کیت اندرنماز نہ پٹ کم اورافضول تدر ےکرک تلم 
تیف می ںنماز یڈ حك كوي ااال کح اذهك اتدرتى فراز بذع ل - ایک وف تحضر عا ری الرعد 
م سے بابرا كر فر ياف کے م مرا ای نت میں نماز پا ھک رآ گیا #ول ,وگول جب دی 
انہوں نے میم می ناز يتمق امیر میت الک ايك ایک لاک سک برام ے۔ 
راس سك بعدمقامابرا ڈیم ہے جہاں ارام علی السلا م کے يرول کےنشان بالكل وا ور 

موجود ہے ال د ورکعت نماز يذ ہگ یم بلقل س ےآ دق مال مال ہو جا تا ے پھر زمر مکو کہ متخ مز يدار 
رتاپ هل نے ہس مقر کے 2 پیا دو مقر لوراء وكيا چو کے نے کموک ووركر نے کے 
لے جا بیاسے نے بيال دو ھکر نے کے ك اور اسف يارى سے شفایالی سك لے لي ليا نؤييمقاصد 
| »دبا ہیں ۔عدیث دلج الزمزم لما شرب له “زم زم ینس مقصد کے لے گنود 
صر پرا وجا تا ے کر بیت اش کے اط راف ب ل صفادھرد ہک بركات ہیں » بی ری او رع رفا تک برکات 
کو کچھ حي .هر یت یل س بگررفات کے میدان یس بڈ اکتا ہکا رو وآ وک ہوتا + کاخ ال کہ اکا 
ےرب نے اس ےآ کے دن ما فک کیا الل کے بعد ردلفہ سے اك رکا تکود یئ یاک 

پیر یی تال ہیں جو بوا لضو ر رانا موم کب دبج > پڑانااعطیناک 
الکو ثر» ہم ےآ بوت رع طاکیاے۔ 


مدینة الرسول ترک شر صوررت بل 
یره با اور رک کو رکه مج ےکا خرس جس ابمان کےسا مج مما ا حم 
اور حلت اع یں دن ہوچاتا سےا نکی شفا عم تک تو رارم ےک ارڈ دی ےگو کرو وآ ری ہے۔ 


على نطبات 1۵ روعاضیت سے مالا .ال امت 

یودهم ای مز الیک برا یا پا ی برا کے امه ہے وبال تضوراكرم کاروض بطرے 
ری اس ای نیو ں کی تیرو کی زيادت 00 لین امت مھ رل صاجہا الف ال فک 2 
لج روش اطہ ر گھوں کے سساسئے يارت کے لے موجور ای با کرام لرتا سه 
اوردرودشیں کر کے بی عاصل رتا ایک | قا كسا اس بيار هتخا کان موجودے ا نکی 
رسد کاراب موق دہےمتبرموجود ہےآنے چان کا رات معلوم ہے نے 
ردو كاه دسم جود سج بی يدوق لا نے افش جج ریگ اشن ےآ نے چان ےک یک کی مو جود سے 
نیارد کر مو جود میں از وا مطهرات اور بات رسول اوراعها ميرك ت ری مو جود ہیں ۔ ہے 
زنددوتابندود إن سے تام نشانات و سامت موجوو ہیں اكياديا کل ہب ا ذبب کے 
لطر خد وال مي رسکما ہے یا اپنے نی اوراس ایکا اس ریپ فا ک کا ے ؟ برس 
یں موی نب روب ےلیک تضو کر مسلی ال علیہ یلم سره تیف کے بیج میس جوحص ے 
ضور فرمان ماب جنت کا پا بو وہال فراز تس یا لاو تکرتاہے کر 
کرناے گیا سب چم نت می كرتا ال طر تیم وولتول سے مالا مال امت کے لئ يمنا سب 
أي کہ دہ ان بكلا ول سے ال ر ہے ادا ذتدك شش اس سردم ره اس كيرا أفع ريق عير 
اورتمعات کے ايام اورای میس تصوص قبولبت (عاء کے اوقات اوردیگرعپاوات رولت ای رولت ہیں 
اک سای لها كر ج بے ن شریشین يبل ول - 


رکاج 

یق ت قي ےک بیاصت ہو نے چا نرک سك زياد هق چ اورا ی کے ایکا کے ے 
فک کے صاب مین موجود ہیں ہرآنے والاز كشت زرا سے بذ ول رن راوربهلا یکا تن 
رل كرتا ے .خلا دبكت رمضان کا ہی اول ےلیک خ جك خیر دبعلا كا موصہ ہے ال 
۲ مک کته اوراس لیلد الت خی کی رہ یکر ے پم نف شعبا نک ہکا تکوش ب ىلو کہ بے 
گت ہو اوا توا محا ف فر نے ہیں .سا لآیند کے باس بذ داتعا کے نف شمان 
سین شمان دی رکاپ نک لبھی ہیں اکر فا لکعلا کر تاتے ہین ۸ 
۱ الموج ہیں :ال اس مش بازى چ اتا كن جندول سک ورداع سج جو لکل ابا 
نواعت چا نار تارم ےکوی عیاد تیب اک جرد مھ 


کی رات می ال نظوليات سے ناض روری > ماه کمن روز ےرکھنا تی رکیج میں 9 5 شق ايام 
مش میاه ٤۳‏ ٹول کا ایک ایک دو وو ول روز وں کے باب سے خر ےب 
رع جرف كادوذه سال سك روز ول کے برای ے جولو کو ے اك رع گرم رامش دس اور 
يال کے روز ے بے با علش لواب تل - 
رمضان کے إعدشوال کے کے روز عير الفطرسك بعد بہت زياده اب اورصیام الم مر کے 
در سے ٹیل ہیں يك تكن ساقت آنا ے اک رك ريل بقرعيد کے دل دن دوذ ے اور کر بای بے 
اث ل اب امور ہیں اورآخر میں ای شم الشاان بعلا لى وو رآ يم ے جو تال نے نکر کے 
وا سط سے ال امت مرو ملاع طا کیا سے ۔ 


ھی خطبات 22 روعاضیت تال 2 


عد یت ذل ے: 
”ان لکل شنی بَها ٤‏ وَبَهَاءُ ابی الرآن» 
مچ یز نت کا ايك حص يتا اورمی رک اتکی ز ینتا فرآن ے“ 
ماب بو رک رک صورت الل لی نے الل ام تم ی ےس ان 
انشاء ادا ده جع در کر و ںگا۔ ان تیا ی ہیل ان برکات ے الا مال فر ہا ے - 
آمین يارب العلمین 
م 3 ال كم ہیں كول ال ى نس 
راہ ھلائیں کے؟ راہ رو مترل ی تین 
ریت عام و ے ج ہر قال می تس 
ٹس سے یر ہو آرم کی ہے دو كل ہی نيس 
رآ وع یٹ 
زمازسلنک رُم لین 
ا ال یب وضع بلناس لد يبك مار کاوهدی لَنْعَالِمِيْنَ 4 
قال سول اللہ صلی الله یه َسَلم مل ام مل لمظر ری و خی 
(خره. «مشکرة لمصایح ج ص ۸۵ 4۳ 


ھی خطبات re‏ ایت آن 


ان111 بورق و ما مد يضرو کرای 
موضوع 
ضیل ت آن 
سم ا الین الرتم 
ناهد الْهرْآنَ علی جلي له خاشعا متصَدغامن حَشيَة الله 4 سور حشرا 
"ری رآن ایک پہاڈ راد ےا تو کے لتکو اڈ کےخوف سے و بک مت چا 
وقال له تعلی هرن هد ی لل هی رم ویر مین 4 ی سردی ٣:‏ 
"یرآ وه راست تلا جا ہے چوسب سے سیدرھا ہے اورایمان والو ںکوت رک نا - 
وقال عليه السلام "إن ربالاب وم وضع به آحَرِينَ» . 
"ورام ےر ما کاڈ تھی ا لق ران کے بب ایی ق وبل کرت اور درو ںکوگراد تا ے“۔ 
وقال عليه السلام "ان آشراف امتیٔ حمل الْقُرٰآن“ 
حور اکم نے ف ما اک می ری امت کے ر زلرگ مان رن ہیں“_ 
رواد ناش تج ها 
ر رآ نكمم ابيا كبترم نين کرک پات سكول اکا انیس اور با كود جراياجا ست 
لالش ما لآ ے۔ 
جم لی آیتوں سے جب تا ری نے ای هی گرم نے ان سے کاک کے ان تھا یک 
کاب مضو و چڑلو۔ 75 
نے طح کل پات ل 
کان بہرے ہوگے دل برعزه ہونے کوج 
ہو سنو ال ہیں وم تفر تحير تھی 


“ی خطبا تہ FIR‏ تیلست آن 
حي فحگرت شر ال کی ترس دل يريك نہ ہو 
كوول ے خاشعاً متصدعا ہو ےک ے 
ران مادیٰے 
ترما ن! 

رآ نکریم ار تھا یکی وهآ خر کاب سے جس عل ابق تا مسال كتابول اورکیفو ںی 
معترل اورمناسب تلمات در ول يو ه لباب سے ججوسابقہممام ۱ الى ابو اورگزشر جھر رل 
يال اوررسولو ںکی جا تیر ور ا نکر ے میکسا ب کا تا تک روح اورانان کے سق حیات > 
اش تھا یک زات یھ سط رب وراءالورا ے ای‌طر ال کناب وراءالورااور بالا دای سے ءال تال نے 
صرف ا کک وکا بتر ار دیا ے اورف ا لإذالك السکتساب هلاب کی _جاشتعال کے ہاں با 
کماہی كنا بي ل بكوكل حدیت وف دكن بي نو سل کل بللا ىا لتاب ال ہک تر یات (فیرات 
وأو جات ہیں اوراكردنياوى فو کالب لوه مات با ل کال موی لین اشتعال ے 
إل ده اس قائ لي کاک وکنا بكانا م ديا جا كنا ب زرف "کناب الق ےا ىا شان کے 
مركادى ديرم ركارى طورشم وطرم پہواورہ یکناب معیا روم ہو چا رون الرشيد نے ایام الك 
سے درخواس تک کیہ نل مركا رک فر ان جار ىك نايا رتا ہوں :اک ہآ پک تصني ف" مک ابا کک سرکارنا 
لور پہ پردفتز یش استفادے کے لئے پیا ر ہے۔ امام ما لک نے فری اکا ے ام رامین !آي الیانہ 
کب لد حيفيستصرف ال تھا یک کا بت رآن مدکی ےکی دوس رک یکا بک ہو جا ے۔ 
اش تتا نے ا کا باتک کے ل نے وا لاك انسانوں کے ے ز رل رایت :نا ”نا 
لأست ھا یلت ہش هدی للمتقین تقو يراك كول ا بكل]ي نوا > 
لئے ذال ی رآن بنا ے اورا راښد وگ نے ےکا آپ رات زرا ا کور سےس كولكل نل 
ترآ زان كر ن تک ادبو لك ول انافو لكواكر ان ایا نکی وولت سے بل ا ہا 
سلا صرف كياب کے ذل يع سے پرا م1 ئے ہیں۔ 

زک یل ی رآن ایکا کرک کے پہاڑوں اور چٹانوں زرف انسانو ںاما 


0ب0 أضيلتث آن 
ل نے اللہ ےکم سے فرش فت اورمو مکی طررح نرم اور خدات رس انسان بنادیا اورقا مت تک تہ 
سک انافاس کے لے ذد له یت گی ۔آ پ خر تصرف الکو دع کال بت« ناش 
مور لمران موجود ہیں اس سآ پک از پیا سکروڑمسلائوں کےتحلق یسوی ںک وہ جم کی 
زور اضر ہوتے ہیں اور ین یل مار تآ ست ہیں ہے پیا ںکروڑمسلمان چر ول میس ے 
ب ورلا حطر ات کے خطلي سف ہیں ا نطبو اوروگظوں ع لك رآ نکر مکی نخيسات اورا ییآ یات 
بول ہیں یملمان الکو سفق ہیں اوراپنے دین یمان اورايق) ہدایت واسلام سے ابس رچ ہیں 
رک ان انی خر راخ کی جل وجل خو کو کو پرا تک ليك شم پآ جانا ہے۔ 
عرب لو گر ال براه راس تجا سن ہیں اورم کے سك لف زب ول میس تہ ام 
7 بات ما ہیں ال طررح ای کآزادخیا لکنا كا رسلا بھی قرآ نکر مکی براي تک رفت عل 
مضو زاو اوروہ اسن یبن من ہے يرخا ص كررمضاان لک مات عام ش رن 
كاتا کہ ار بپری دن اکی ترات کی آوازولکوایک ساتھ فضاوّل ل يوز اجا و ملف 
آوازول اورق ران سے ز عن وآ مان بل جا میں سك او رکو تس گے 
رآ نكر بااققیارمقام چا تاج 
قر نکر مکیٹس طررح ڈیہ با رمال پل ایک ہااضتیا ر اور با حیٹیت مام قاری 
قرآ نکر کووہ متام ل جا توق رن وی جار بھی ھا کتا سے جوتا شی راس ونت دقچ سے خلا 
يرب سل انانو لكر نی لیات نے ایا انان باد ا تس څح رش کک نے کے 
رال دياك مون ملا ھر ون اول مسا کے وور سول الله ای وم نف آن 
کرک مکومواش رہ کے پرشے میس اوران ای زرك کے ب رہل كيك پاا ترا مایا معط رال 
سے پام وكصاياء چنا حضو رارم جب جہاد کے مرو اقا تق آپ مان پاش 
کا عفر دفرماتے جس کے ياس زیا دوق رآ نتفوظہوتا اور دوق رآ نكا يادوعا لم ہوتا ا طررع فرت شش 
نکم ولك مقام طالاال نے ایا ام اہ رکیا بی طررح حضور ارم ن گلون اورعلاثول يل ان 
ااام ناس کا اعلان رایس کے اس يدوق رن جو رما لكلو ناور لول يل رآ ندرم 
یا ۶را زک متام لانو رآ نكري نے ہاں اباش ایا شادى د یاه تضوراکرمم نے جن ایکا ہر 
رآ آیات او تیم تق رآ یکوت ر ارو لکا بی تي یکو رآ نکر مکی اغآ یا تکھاد وہک کی ہر 


ھی خطبات 8 FF‏ تر 
اح ےا طرح عا سواشر ہق رآ نک ری میقم چک اعد سے میران لله “تار 
رکه تھے جن کے لے اج یقرب کدوائ یی ایک ای كبرل دو دی نآ دک دس جات 
ال میس تضور اکرم نے اعلان فر مایا ارس کے بای زیاده رآ ن فوط موا کوت ہکی طرف رك 
کہ وای ما ےک عافظات رآ نكا اعز از ہوا ی ررح قرآ نکر مکو جب پ افیا رش ف کامقا م تال نے 
سی یراع اود سکم ساپ یرک اک كرد ىكل وو رآ ن بی کے مو کے ورد نی یی 
کی موق یک لآ دا ت نک یرال اسلا مين وہاں کین نے قآ نایک 
آزادمقام دیا سے اورٹوواروٹو جوافو لكووولو كل ق رآ نكري مکی تا تک رل ایک عركك چلاتے 
يف آپ وبال چا کے کرای ےل تک لآ بکود نی مداد كا ایک ہا معام داڑھی منڈانظر 
ی الول روز وخورییں طلم الول فیا زی کل اكول ز نا شراب خوراور چو رکیل سكاس 
کی ب کیا ے؟ صرف ب ےکہ وبا ں ت رآ نکر مکوایک عدکک پا اتا رمتا م دی گیا لو ف رآ نکم نے الى 
ا خيرظا ب رک د یکنا اكول طا معام شر لج فلا ف ایک دن ان مدارس می كي كز ا رکا ےخق كناد اکر 
کول تفیسازش سے تفہ مقام رک رتا لاك الگ وت ے۔ 
بھم نے س رکا ری طور رف رآ نکوکیامقامدیا؟ 
اب نے اس شيم الغا کاب کے سا کا يا حشرليا كس كار ادارول ںو لاب ھ 

اس ترا ندال بج بكو لكك ےک | اکتا بک پا تک رجا سن سن وال تا 
سكسل يمره تی کی ءیار با ول ابا یط رانک بات قر شی ے 
ٹوائین پہ پابندی ہے اى طررح عدالتول می مسرا فول کے لئ مسار انول کاب کےتوا نین اور وفعات 
نون لا رک ے٠٠٠‏ دی رآ نكم کے باذ پان غ نےک ری عدالت با ات 
سحب سے منت اج تر کے بیدرخواست کرد ی کہا کناب حمطن رات اج 
نآ وه دود عالت سكسا تل بین عرالت ری کے .پاکستان سے جن بھی ری گے 
یں ياي ينث يا نٹ سکع دانسا ادا سك ہو ںی بكار طور یق ناكو یم انی کا 
کر الف لام ے ےک "ای" کک يود سے رآ نکر خلت رانوں کے سا سے ای آنيت” اک 
یس جوا قائل ہکا سے مرکا رک طور ناف نکیا جاے ری دسلا کاب انار عام مھا اك 
کیاڈا سل یکیا٭٭ادرواز ول کے يكك.. ٠‏ الول می بن يكنا تاب آزاد ےنیس رس 


طات_ ۳ فضیل ت آن 
قا ون پاکتتان اور رآن 

رآ نکریم کےتوا مک تحفی زارا کا مت یبا لا تاه ان کنیل . يريخ نک ن صور 
کر ال رآ کے عقا سبك میس ایک اورقا فو نکی کرد ا گیا ہے جس سكسا من تھا نون ر1 من 
نون بی کیں. 
0 شا رآ نکر مکہتا کہ ورک م زایے ہے کےا کتک جا ۓگ رقا نون پاکستا نکن ےک 
ایاطم بل ہ رکا ے۔ 
(0) رآ ن کا کہ یاک دا گور تکوگاکی د ہے وا ےلوہ لوڈ ے ما رون رق نون با تاکن 
ےکپ ہیں 
(۴) رآ نک مکنا کشا یکی لك« ۸کوڑ ے لكا دوين قافون اکتا نكبتا كابش بو 
(۴) تق رآ بجي ركبتا ےک ز نا کارمرد وكورت اگ في رشادى شده ہو سوکوڑے نا روشادى شدہ ہیں نو 
سا رکروقافون کتا نکب كاي ای وتا ہے نیرکسا رك يل کے لوڈ ے مار میں کے جنا چ رآآن 
کک یہ الآ یکی سذياكتان یں وك . 
(۵) رآ نكري مکنا ےک جان کے بد نے ان ءا کے بد ےآ كك ,كان کے بد دكا »ناك 
کے ہد ناک اور مه بد زمر فون پاکستا نابا كاي تل ہوگا. 
(٦‏ رن كينا ےکہسودترام ےک رتا نون اکتا نکپتا لامكال سود جا رک ر ہنا چا بط . 
(4) تقر نتا ےکہ با ےگا جے شیطا نک افو اگ یآنواز یں ہیں رع یں تافو ن کتا نکہتا ہے 
کپ وال ا سکوجاری رگ 
() قرأ نکپتا ے علا لکما و علا لکھا مگ نون کتا نبا چاو کی پٹ ا تي چا ورد 
ر این !اب خور رک لی سکیا یصورت حال اتال ےک اعلان جن کی ؟ اکر ری 
الترل اکرلںے؟ 


بے 
سا 
ے‫ 


1- 
۶ 
ںہ 


ق رآ نک ری کم ل نظام 
جب اک ابترا مس ای کآ یت میس نے رک ےکی رآ وہر متا ات وی رها وش 
ارآ نكر مک رازھ م انچ ی مقول ,سل او رمتو ازن ہے یز تقیقت پشرک يا ح اود جھ ہرم 


می خطبات ۳۳۲ فيلت راان 
کے ارط فی سے پا کچ رآ نکر نے جوا ماس ده افرط خی سے يك ولو 
نے جوعبادات دسي ہیں انتما لم مناسب اورمتوازان ہیں ال نے جونظاممعوشت ديا سج وه واسقيرار 
سے پاک ہے ای نے جو سیا ست دثقافت دک ہے دہ ال موزوں فط ری اور سکون ہے اس نے بصم 
نگ کانظا دا ےاہایت ناف پان ہے ای نے اقا تشه« نک ری ےہ 
لوس منت ہیں جوسپائی یسل پراستوار ہیں ذيبن وآسان ان جک سے بل ھت پیک تار 
خان سر موخلاف داع خا بت نہیں ہو كت ہیں الل جار اود باذ وی انآ خا ردد بی اوحار لف 
بادول سك ب لروذ دل رد ےھ کہ نے ہیں اورال کے شنج میس را قال اعار جزل عامل 
کرد سے تن یہ قر آل !غم پیر کے انان تليق ےبھی پیھک روم Df‏ 
عالت ما ضر ہک پوری ٹا ر كرتا اور بل کے مرف حیات انان ثبل ی بعدالموت جا ری 
احوال ایی ول بنيادول يرت یکر کے د ينا جس میس انی اٹھان ےک یکوئی جرت : ا کے 
اوراطف ملسب مقت یل د ےر ا ا- قطان هذالقران يهد للسی هی اقوم وبشر 
المؤمنين # شق يور ادها ها یٹول تافل ےی له 
کان نتان تکس کے شا ن تر آلناکے بارے یش یبا 

آن اب زره ثرآن عم 

کن او لال ات و قرم 

تالک زد تب نکر مکی دا ارق ےم ہیں 
ني او اریپ و رل 
ا رة اول نے : 
اک ایک ف مل دق چات نامیلس 
فی اناں اپام ہیں 
مامي ار رحسمال مس السمیسن 
ی انان کے ےآ ےک پنام ہے جردت ة لین تاه 


على خطبات rrr‏ فلت رآن 
شا رآ نکرم 

رآ نک ری شل نووت رآ نکی شان میس ڑآ یی مو جود ہیں :ہے دفو رآن نے اپنا نا م رآن 
لظ ےگا حاورا کے علا وم دوس نا مول کل دفعا یا ےکر مکی ہے اور بیشان ارتا یٰ 
خر رآ نكر مل رآ نک بين ف ا ے۔اعاد یٹ مقدس میس رسول ای ان عم ےکی 
رآ نکر مکی بای شان اورفضيلت بیا نکی ے صر فلو ج ریف م لكياره بے سات تل 
ے, ایک عد یت شش تضوراکر مک اراد س کت سب سر وہ سے جوق رآ ن تله 
ولا ایک صد یت میں ےکی رآ کا ماب رمعزز فرشتو سس ترم وكا اور جوا کل اك کک رمشنقت 
ماوق رآ بذ عتا ےا كو دنا اج هك 

یک اورعد یرٹ م حضو راکم نے فا اہج شش کے سن لآ نک ده یا نگ رک 
رس ہے۔ایک صد یٹ نل ےراس نے ق رآن بذع اوراس ب لیا مت کے دن ال کے وال مين 
تياس كان لك رو سور کی روک سے تی ہوگی۔ ایک حد یت می آ یا ےک اگ رق رآن 
کیال عل رکھاجاۓ اوریچھ را كما لکوآگ میں ڈالا جاع توو كما یآ لیس .جهن یک 
عدیث یس ےکی نے ق رن یا دی رای کے طا کوعطال اورترا ورام جانا نو القدا وجنت ل وال 
سادا کےگھردالوں یش سے یں دیول سے ا لک شفاعت تول ےگا 

ایگ عر يث 22 ےک الد تال تلق نات ے ایک بژارسال ی مور طا اور 
پڑھافرشتوں نے جب ات کاس اص تکومبارک ادہش يت آن نال ہوک اوردہ نے 
٣اک‏ ہوں جوا ق رآ نکوکڈو كر کے انی یں اور و زب بل ميارك ہوں جوا لق رآ نكو ريس یب 
یٹ شل سک یرول ا لے زک کآلودہوتے ہیں تی كلو پا ی كله سے زک کآلود ہو جانا حابس 
کاس اللہ کے سول !! رول ا زيف حصا تک سے ہوں گے؟ آي فرما اکہمو تو یدید 
تکام پاک سے۔ایک عد یٹ یس سك الث تال نےآسمان سے اق رآ نکوایک د یک 

ل مل انمالوںکی طرف جب ککرپھیلادیا > ال رک کا ایک ماش تال ی کے اك یش سے 
زا نوں سے پال ے ہلپ جس نے ال ر ی مضہ وی ے تیا م لاه انش تدای ی کہ گیا بہر 
ام موی تو ایک می م وضو ع لآب سسا رکد ی , 
تال یں ت رآ نکرمرے وا گی ی (آعن) 


على خطرات ۳۴م یلت قرآن 


ری غرب سے نہ دولك ال > 
2 کو اسلاف سے کیا نبت روعال ك 


وہ حززے زا میں مان ہر 
اور جم خوار ہوۓے تارك فرآن مور 
احاد بت 
ع تانب فان ی عه عن اي َلّی الله له سل ال رک 
من تعلع رن وَعَلَمَُ. . «الترغيب الترهيب للمذرى کاب قراءة القرآن ۲/۳مصیم 
وَعَنْ جاہر زضی الله نه عن لبي صلی الله َل ملم قال اران انعم 
ماج مُصَدَقْ مَنْ عله مه إلى الْجنة من جَعَلَه خلت هره سَاقهُ إلى الار. 
(الترغيب والترهیب ۹/۳) 
رن مه تن ماع له رجی له أن سول الله لى له هل 
ال من لزان زعول به لیس َال نموم ية ور خسن بن صو نس 
فى بوب الدنيا. (۱۰/۳اترغیب والترهيبع 


7 
سے ۳۳۵ 


.. ارآ سح دی کالو دای 
موضوع 
رآ ن شفا۔ے 
مم الد ال ن ال ہم 
قال الله تی ول من اقرآن ماه , شِفَاء ورخمة آلمومنین ده ولايزيدذ 
مین إلا خسارا نی سرنیل۸) 
"اور ہم خرآن مم ای چڑ يل تاز لكر -2 ںکہایمان الول کے تت ںو شفاء اور رضت اور 
ا نصافو لوال سح الثانقصان بعتا سے _ 
وقال الله تعالى لا یاهلاس ی قَدْجَاءَ تکم مَوْعظة من ربکم فا ء لما فى 
الصَدُوْرٍ وَهُدَى وَرَحْمَة لِلْمُؤْمِيْنَ4 ١‏ «ونس:ه 
”اسلو لو ہار سے يا لتہارے ر بک طرف ت يك تآ ہے اورولو کی يعار ىك هفاً لی 
اورسطرا فول کے واسط برايت اوررضت ے '- 


قال زسول الله صَلّى الله علیه وَسَلَم: : لَه مش بالْقرآن قلا شاه الله 


م رن شفاے 


تعَالٰی . (روح المعانی, ج۵ ص۵ ۱۳سور :بنی اسرائیل) 
”ایک روات یی ےک رسو ل کرم نے ارشادفر مایا سنن ےق رآ نكر سے شفا حاص لكل 
وا شقا یا /رخفای دس" 


واخرج ابن مردویه عن ابی سعید سعيد الخدر ی قَالَ جَاءَ ر جل إلى ای صلی الله 
عليه وسلم فقال انی اش | کی صَذرِیٰ فَقَالَ عليه اعلوة والسّلام ءارآ رل الله 
تعالی شفاء لْمَائِى الصدؤر. ( روح المعانی ج "ص ۲۰ ۱سورة پونس) 
حر الوسعير خد رک ےر وات ےک ای یلص طوراکرم کے پا لآی او کہا کہہے ے 
میس درد سے حضو راکرم فر یگنشت[ )کا رشا د کرت رآ ن شفا ان اعراض کے 
لے جنول میں ے۔ 


على خطبات ٣٣۳م‏ آ ناشفا 
ے ہے ہے ہے سے ہس سو ۳ سے 
گر رات ! 
رآ نتمم ارتا یک کم جوا ربانب رفظ سے بركات ادرددعاضیت سے الال ہے 
اس کے ارک الفاظ “ی کات سے پگ ہیں اوراس کے بای معالى ی روحا نیت دبرکات حرس 
ہو سے ہیں راتا یکا و نشی مكلام ے جوانسانوں کے نابر امراش ومصاعب کے ےکی شقا جاور 
زا یں کے اطنی مش وعناو ہکن وح اور درا باطیراوراخلاقی رذ يديه کے ےکی خن 
ے اس کے بذ نے سے دل نرم ہو جا جا جلو جب پکبراورشقا ونم ہوکرخوف غرااورغراترى وال 
ےآ ب سسا نے یر نشکا روحافى اغ وک یہو انراز سے ركنا چا ہت ہوں اور 
7 ابرق يبل نا ہری شنا_س تخت اور تلق ونا وی اتر سے ہے وداب سكسا 
رحو لک اکدوقول يبلول سے ھ ستنفی وجا يل 
رانك ٹیک اخروی يبلو 
رآ ن شم تکام اور بہت بذاوفا دا كلام ہے جن وگول نے اس دنا الا 
كلام اللہ سے وفاداری اک یکلام نے کے بع تھا س تر ےک رش نرب جن کک ا سآ د یکی تھ 


وفادار یکرت 
سورر سين 
چنا دعا لت د ئ جس اكول نل دا سور کو یڑ عتا سے )کو وم اہڑ ‏ ےکرسناتا او مان 
كني کف وہ آل نارکا کروی میں ایک وفع بڑھتا سنا كود رآ 
باع کواب تاے۔ (زری) 
سورت ملک 
اور وض سورت لک پڑہتا ل قب ر کے عزاب سے ال تیال ا کو مات ے چاچ ذلا 
ښک ایک عد یٹ ل ےک ورام نے اي كم سورت انب عن والو فا بے 
بیان ےن پش نے اس رات شل بذ عا نے یک کیا (ترزی) 
رت طا ‏ لک ایگ ردایت یل ےکر سورت | ره اورسورو ارک لبیل 
ال سورقوں گنای کات گے۔ ‏ «تزى) 


مر فلات rL‏ آنشفات 
هرت اه سے دواعت ہ ےک ہہ کر سے اک رآ نكر میں ایک سورت ے جرس 
۳ شنل ےسورت مک ہے۔ بیسودت اپنے بخ داس ےکی ال وقت تک شفاع کرت سے 
میں سک مففرت شش موجالم- (رمی) 
یک روات شل ہج ےکم ہن یکر ال وت مہو ے تھے جب کک سورت كلك حلا وت ئل 


زره 
كايت!! 
حضرت این عبا اف ا ست می ك مايل ای ےک قهري ابص بكي اورا نکومعلو میس تھا 
تر ےا ایک ا سکومعلوم ہو اک زو وک انا نک تر ہے ادرو ہ سورت ملک يود > چا 
رباع اس سے سورت کل هل مرها ضور 21 کے يال كاورش كيام 
سول ال نے ایک تمر پر اپا خی فنص بکیا كر شش حا تانق ليث اياف الى کےسورت 
تک ہا ےکآ وان سنال دک اور وه اكوا تک بڑھگیان یکر نے فر بای سورت عا قرو رکه وال 
ے جوا لکوپڑھتاے دوعذا بتر ےکور تاے۔ ٠‏ ر(ززی) 
مل 
ٹچ علاءنے اس تج با تک اد بر ای ےک جوت چا تا ہک اپ ےکی منت مرحم سے 
اب شل ا لک بلا قات ہو چا و«سورة ملک پڑھ بڑ ےکر الصا ل نذا بكر انتا اشرخواب ل 
پت ہو جا كلد 


ورت 2 وو ل اھر 8 
ایک حدیث میں فر گیا یا ےکر دوت تاز چ زو لک ها کر وسورت بق ره اورسور ٦‏ ل ران ہے 
قات کے دن اپنے ہڑ ھن والو ںکی سفائ كي کی اورالڈتھالی ےل ہگ کر بذ نے دا ےکی 
22052 رم 
اریت يل الى اله ملم نے فرب اکب رآن اور رآن بيك لکر نے والے 
روزا کار آ بل ےک سورت بقرو اورة لعمران ان unl TLL‏ برک 
1 7 ان فا لک وه د ولول اس رع 1 لكوي دسا دا رت ےسا تان ہیں اور 


لات 


على خطبات سے مرن غفاے 
لیے ن 
مگ شی کی ایک روایت می ےک تضوراکرم نے سورت بر ہک یرک دوآیتول امن الرسول 
زراب کج راتوا نآیات کو رڈ ےکا دوفو ںآ یں اس يض ےکن وج ای گی 
سورت زلزال 
سورت اذاز لز لت کے خلق امار یٹ ںآ یا ےکا کو ہبڈ عن لصف رآ ن کے بر 
ابه هه ٠‏ 
سور تکا ۳ وك 
سور کافرون هت مایت هل ےک یلاب ل ایک چ وتا رآلن کے ب راک 
رح سور فص کان ا ايك چ وتا رن تیگ - (رزی) 
سورت الال 
رت ابودردا سے روایت جک کر علیہ یلم نے فر ماک کیام می سےکوکی ٹل 
| یک شب ل ايك تباث رآ نئل پڑھدکتا؟ اسف کاک ارول ال یب رات یس ایک تال 
رآ ناون ڑکا ےر بای قل هو الله اح ایک تھا رن کے براہرے۔ 
رت الہ ہریڈ فرماتے ہی کر ایک دفعہب کر کے پا کیا آپ نے ایک کو 
قل هو ال احد باع اپ نے فرمایاداجب ہو بل کیا یارسول ار یایب 
رپ اشع وم نے فرمایاشت واجب ہوگئی_ (رزی) 
وی وراو ں کے اخروق اتد سكعلاو بو رآن کے جو اغ وک فضائل ہیں دو سانا 
إل يك عد یٹ تضوراكرم فر ا اک رآن کے ای یرف يرو تيليا ں ق ہیں میں ري كناك 
۱ یک رف ے بالف للف هلام الگ رف سالگ جرف ے۔ 
ایک ادد عد یٹ مل کل قرآآن بذعا اوراس برك کی ت تيمت کے روز ای 
الم ییاد تا پنیا جا ےگا کی رد سور ک روک ے تبر موی ۔ 
ایک ادر عد یث نيسيك كرت رآ ناکما شش رکھا ہا ے اور رس می ڈالا جا 
دا لآ گ می بی ہچ ی( میرن ہوا بر گ الي كر گی )۔ 


0 


2 
ہے“ 


رقل قن تعطی ظا یه 
91پ مک سيد 


3 
ا 
72 


قذجاء تکم مو 
رخ کے 


۰ 
۱ 
و ۱ 
1 ای 
: م 
لب 15۲ 
2 ا 
و 3 
3 
١‏ ۱ 2 
و(“ ف وه 
4 ۰ 


-4 
9 
4 

یس 


4 
العنو ۰ 


٠ 


e 
> 


یاک چ 


صر 


ما 


5 5 
ے کے 
ار _ 2 


ز7۰ 
سط > ہے amr o‏ 


ا 
ہے 
0 
- 


. مرچ م 
وات سه ل س 


شن جو ر رست سه 


- 


ان 


< 
ما هو 


ذف 


ورحمه 


مامه 


5 


٠ 


اما 
الف 


a‏ جھ 


مب سب ٭ 


07 : 
- 


۲ 5 
اي 


۳ 
هه 


جع 1 
کم سےے*ے 
۵ سے ہے 


- 


سے 


عم یخطبات ۳۳۰ رن شفاے 

چرچ سس سس 1 

ان كاده دوا تقول میں ےکی یآیت کے تلق علا معا ال‌طرن للتت ہیں: 

نی جس طر ت ےآ نے سے بالل بماك ہا رآ ناآيات سے تدرا ری 
ے روعاف يجار يال دورو ہیں » دلول سے عقا کد باطلہ ءاخلا فى ذ می او شوک وشجات کے روک مک 
کت بف عسل مول ہے بللہ بسااوقات ا کی مبارک تا شرح دک تک ها ملک جا سب 
کرو العاف اورزادالہعادوغیرہ شل ا کا دف ہیا نکیا گیا ہے رمال جولوگ ایمان لا 
انس شف کواستعا لكريل کے بی اور روما امراش جات باکر خداتا یکا رصت خصوی اور 
اب رک بالف ستول سے رفرازہوں کے بال جوم لی اہن جا نک ون طبيب اور علا ر ےو تك 
تان ےا طابر ےک ہہس قد رعلا ر اوردوا ےر تك کے دور ھا گ کیا اى قد رنتصان انما ےکا كر 
مرش اتد اوز ءات ےہک ہوتا جا 62 جوا خر جان لك جوز ےکا تو يآفنت ق رآ نکی طرف عاش 
خووم ریئش نا مک طرف تال (تعی۳۸۱) 

عا محال اس دوس رکیہیت کے تخلق كلت ہیں : 

سب صفا ت ترآ نک ےک یف رآ ن الال ےآ رک تحت سے چول وکو ں کو ہلک اور 
بل ےر وکنا ے۔ دلو ں کی یما ر ول ےک شفاء- 2220-0-0 

سورت فا کل شفا ء سے 

سورت فا وران ای مکی کی ورت ل قرا لمر ور موا اک گے یکنا ا 
كاي زان رآ نکی ہے۔ ال چول سے سورت ک ےکی اونا بھی ہیں بل می یک نام سورت 
فاص کن دنا یں چا 
() ہر تگہدالمیک بن كيمس مرو سکول ان املد ليريم نے فر ايسور اتج جرعش > 
سو ری 
(r)‏ رتکد الق جن چا بر سے مرد کاس ےکور فان برش کے ے شفاء ے اورايك روايت تما 
س گرڈ فا سوت ابرم کے لے شزا +اوردوا > اوربتض روايتول کیا ےکر ورفاک 
ت‌شفاد لی ے۔ (r)‏ 
(۳) شعبی سے مروگ س كدان کے پ یه کرد درو کا کیہ ضعب ان 


بات ۳۴ رآ شفاے 
ےکم اس" نپ کردددی ہد کر انل و جمااساس الق رآ نکیازے؟شعبی 
نے اوت اقا اس رم سے نل سے ھی 
جاتۓے۔ ( کال شن اوراں کے تن ) 
(0) اي روات ل ےک چون ہو نے وقت سورت نا راوثل »وال اهر ب ےا دوموت کسواہر 
لا سے ما مولن وغوت ہو چا تا ے_ (انقان) 
فاکے اک گل 

مغ سے فا یل چلاآر ہا ادرو دای طرں مل سك ترك دوختوں 
اروش سك رمیا ن کوش سورت فا تسم الات لاک و لاال ض آليركك ایک ال ے 
روزاہ ا٢‏ باراہ و نتک ہل اغ يذه لے اك ضكوذا تت کے پل پیا ذکویض اکل ہو جا ےگا ال 
کے بعد يض جس مش اور ز ہرا ورس مطلب کے کے تصوصا با نے کے کے کاٹ اباد پٹ ر 
دك سكا اتا لى مرت لکوشفاعطافر ما ےکپ كط ری تا ل طرر->- 
بشم الله الرخمن لحم الْحَمُدلِلهرَبَ ان الرزخش الرحیّم مالک یم الین 
یاک نَعْبُدُ ویاک نستعین اهدنا الصّرَاط الْمُسْتَقِيُمَ صراط الذَّيْنَ انعمت عَلَيْهمُ غیر 


مسب علنهغ ول سین 
ایک ساس سے بذ هنا سني نو هنا سه 
جکامتا!! 


حط رت ابن ها لت ددایت ےک ھا ہگ ایک جما ع تک پا کے ای ککھاٹ ركز رہواوپال 
ساب لقاال سید کرای ےکا پ لوکوں می ںکوئی د مر نے 
والاے؟ کول مار ے بال أي کآ د یکو اٹپ سل لیا ہے ۔ كاب مم سے این (ابسیرفرری) 
ان کے اھ چلا گیا اور چن بكر لول كبقل سورت فا سے الود م کیا و ہآ و کت ياب موكيا اور ہے 
یا یکر یاں نےکر اپ ستول کے پا لآ گے - سول كناب الث پر محاوضہ لی ےکو بین کی كيا 
ہا ںک کک سب به مور مآ گے ( اور یا نی ساتھ ہیں ) پچھ رسب حضو راکم شاک یا 
سول الف !انض سکاب اللہ پات ل ے۔ کر مم نے فر ای اک ارت تو دی ے جوقر نے 


على خطرات rrr‏ رن خاے 
کاب اش كش نے کی ہے۔ ددم ری ادایت ل سكم نے ايج اكياسج یر سے لئ گیا ا میس 
ے عقر رکرلو۔ (متلووص ۳۵۸) 
بع !!٢۴۶‏ 
سی و وُہ ا می ں کہم یک ری مکی ال علی لم کے 
اک ے(ای یگ )جاه ےت ہما راگ عرب کے ایک ابید بر ہوا۔ ابول سکب کل معلوم ہوا 
ع لوگ رس( حضوراكرم) کے اس سے للع موب کیا مار پا لوی دوا 
زم ے؟ کک عاد ہاں ایک يكل زر ول ماکان ماس بالطلا 
ولوك اس پا لکوہمارے يال نيرول میس بر وهآ بل میں نے تن دن تک تام 7 
سره سے د مکی یش فا کر دنہ می تھوک تع كرتا اور رال ویک ديا نما چنا يرو ون ایا 
یک ہو اگوی کرک نے ا یکی رسيا کول ديل را لوگوں نے دم معاوضہ دے ديا ٹیس نے لیے 
سےا کیال یہک شتو راکم سے لد چولوں حضو راکرس رت لو نے کے جواب یف مایا ا کو 
سک کاو م بنداجس نے تا جا دوم سے چک کرکھالیا(دوبراہے )7 نے یفن دم کے زر چ سے 
كعاليا- ( وو )٥۵۸‏ 
ادر ے !يا برت ومواوض رک ووصورت ے جوطب اور ڈ اكز مہ شا ے اھ 
گت کا موا وضہ ہے سب کے ال چا ے۔ 
عوررك قر 8 
ل لحرن مودت بقره پگ جاے ال شل شیطان دائ لی ہوتا ے۔ (سلپٹریں) 
یدد سک شیطان ماما ستوں اورقا متو كا وم ے جب شيطان سا لوا 
ھ رکا انار وتو ےگنر ہو کے 
آیتاگری 
اط رق رآ نکی سودتوں کے خوائس ہیں ای‌طر ا اقول کے خوائ کی ہں۔ جنا نايت 
۳71 کے لمر یث میل سے سس +9۹40 و" 
() کزان لت اتدل مل سب سح زياد گنت ا یکو حاصل ے اور ت مآ و لک ما 


على خطرات Fer‏ رآ ن‌خفاے 
ے۔ ١م‏ مٹریب) 

(۴) ایک حدث یس بط رست لال ماتے ہی ںک میس نے امل ربو ب ٹپ یک رب صلی اش حلیہ ریلم 
حفر ے ہو نے اک ج زار ے ہیا یت اککری بڑ ےکا تو ا لكو جرت میں ول ہونے 
مدت كسد اكول یزرو کے وال ہیں سے (شقموت کے بعد جنت سے ) اررض نے سو تے 
وت الکو یالتعا اس ءال کے پژوي کر اورارو د کےگھرو ںکی( بابل وعیال ) 
اظ تفر ما ےکا رک 
(۳) عريث لجلا ایک دقع کیش که کے يال آي ادر شيا اک ارول ال !ےی 
ٹف بش وخیفہ بتا سے ۔آ سے ارشادف يلآ يت اکر م حلي كر کیرک پا ری ادرتبارىاذ د يتك 
بت پاش سرد ںکی تنا کر ے۔ (اتقان) 

کات !! 

أ بادك می ںآ الک ری تا ایک وچپ واقعہمرکورے دہ یک اد بر را ے ہیں 
که نكري نے رمضا نکی ذكوة اف وگ ران بنا + ایک رات ایک نٹ مرکا یچ زو له 
اکٹ مر نے 6ض نے ا کیل لیا او کیا کی شک یکی کے يال نے چا ںگا ررض نے 
مزر تک او رکشل ایک تانج ریب اور پال سنك دارآ دق »ول کے بد یکت ضرورت ےرت 
الو ري فر ست ہی لکش نے اس چو دیا ۔ جب مول تو ن کر نے ديات ف رماء لابو ہررہ! 
را تتہارے قيرى ےک کی ؟ حطرت الو ےہ نف ا )کہ يسول اد اس نے انی ضرور ت کا اظباركيا 
اور بال ہو ںکی شا تک کے اس پر گیا اور ل نے اح وز ديا- نکر رای د جوا سے 
درا تکو) برا گا۔ابد ہریڈ کویقن موكيا اس لے ال كعات ليك گے - چنا مہ جب رات 
مول تد ہآ یا اورکھا ےکی چززو كك لگا انہوں .رل دک اکآ یں یکر کے پان ضرور 
نے جلو لها اسح پرخوشارگ روز وغل ببہ تفر یپآ وک بول او رمم ے إل يان 
#ول -ا ھا اب وعد كرجا ول پر ]و ںگا۔ححضرت ابو ارآ با او ربچ رچھوڑ دیا۔ جب مول 
تو رسول ار الل علیہ وم اك سے وی سوال فرمايا اور الو ےہ نے وی جواب ديا واو كزر چا 
ہے۔ ن یکر نے برف رماي کد وا ہے اسين وعدہ پہقائم شد س کا( اور پچ رآ ےکا )ابد ہریڈ تسرك 
شبك كعات نيل ر ے۔ چنا رو آیااورکھانا لين لگا۔ ابو رت ہیں س کہا ےش ادات 


على خطبات rrr‏ اشفا ت 
سے اورقم نے مرم رتب وعد الک ےآ رن قينا مکو س )سک يال لے چلو ںگا۔ ای ےکھا اکر 
آپ کے موز 102 م سآ ایکا تما کا 22 کے ذر ہے الثتعال آ پک بہت فان 
یا سک الو برع س او وان کمات جل ؟ تو ای کہا جب سو ےو آبيت اللرى يوا 
کرواش تفا کی طرف ےت پرایک حافظدمقرر ہو جا 6و رک تك یا ن قرجب شا سگا۔ الوم رن 
ےا ے یمور دیاب 
جب تضوراکرم کے پا سکیا پملی ال علیہ وم نے فر مایا رس قیدکی ن ےک یاکیا؟ 
ل کہ ا رای نے شك چندکلمات ناف( یآ یت الكرى )ماد ےکا وعد كيال نے اس وزرا 
اکر ذف رايا درحووه ہق با ھون لکن کے پگ بات جا گیا اے الد ہین كيام جات ہکن 
دنس كان تر سے تھ با کرد بابو رڈ فر ماس حضو ارم ی اڈ علی ےم فر اي كي 
او شیطان اس تما - مكروش وا) 
الل سے مایت ری بدن سے تفال تك ای قلح راو رحصارا ررقم وا 
تبرت ہیف 
عاثر ليف دل ے 27 مع کے درف پڑ ےک ول وم ے موتك ای 
1 طرف ے ایک ورس وگا۔ ایک اور یٹ شل ے کن ور یف کیا ابقرائی و ںآ ضظاکرنے 
فت پال س ےتفوطر سک ردایات وهآ ری و تو کابھی زر (تزی) 
و 
لا ی لس لم برت کوسور ةيف بذ ھے سو رعسل ہوتا سے اورا کاب 
جو کے پا بیت سے دبال کے نند سے تطا لت بول ساك رشق لا ےت بات ےثابت 
ہ ےکور ةبنف سك برد ھن سے ا سے سے با لان کے نے سے انتا لی اس بذ عن دا ےک 
اترام ہے اور عا مآ ذات سے فوط ر پا ہے جشجنو ںکی طرف تا ہیں و الیت ےگا 
اپ 
لات" 


معان الا بان ات ب لک تفي اتکی چک رسول کر نے ارشاوفر یاک 


ات ۳۵ 7 
رن ناز پو تك يذ تاي ادان کرک عا بورق ہو جا ۱[ 
یع روایات مل سک جن کو ی ورت ےکا تو شا کک نویل وترم ر ےک اور جوف 
عم کے وقت الکو ليك ےد کک خو یو لسکا ردایت کے راد کیان ےک ای 
رک رگ شاد 
سورت دحان 
هرت ابو ریف ماتے ہی ںک رسو اکر سی ليذ ارشادفر ما یک شس نے رات کے 
وت رہ دضان یکی ع تک ستر بر فرش ا سک مغفرت اور شش کی وی اکر ے ہیں۔ (7ذی) 
سورت وافعر 
حر تکبد لش .نوت مرو ےک رسول الڈص٥ی‏ ول علیہ یلم نے ارخا دفر مایا وكش ہر 
اتسور وا پڑ ےکا کی فا3 ت ہوگا رت لین سنونآ فر ايكرت کر 
شب سورت هما كرو (تیل) 
ایک روایت یل ےک خضرت ال حفرت این س عو کو ما لكل کش آي قبل 
نج سکیا نحخرت عاذ فر اکآ پک وفات کے بح دآ يكل كيو لك نظام ہو جاتۓےگا۔تحقرت 
ان وڈ فر ایک س نے اا کاتسا دی ہے ا ن کا ای اننظا م موكيا ے۔ 
سور تق م 
مر متقل بن يرقا سنت ہی ںک رسول الله نے ارشادفر اا جو کے وت ین مرح 
اعوذبالله السمیع العلیم من الشیطان ال رجیم بذ اد ربچ رکم الل پک رسور6 حشر فری مین 
تل پڑ ےلو اس کے لئ توا سر نزارفر نشت مقررکردیتا ے جوا ی کے لے شا متک دعارمت و 
تفر تک تے ہیں اکر وہ ال دن م رجا سے شید ہوگا اور جوا سے شام وت ےکا زا كا نی یی 
اواب ے۔ (رزی) 
سورت الهكم التكاثر 
رت كدالب كبز روات ےک حضو رام سل اشعلیہ لم نے ایک دف کارا )سے 
کیام یں ےکوئی یال ے جو یش کے لع رو زا ایک بات ڑل اک سه حابس 


على خطبات rr‏ ۱ آنخناے 
جواب دی ارسول ار رو اش ایک جنار عي سک بذكت -چه؟ نے فر ما ا کیام می ےکوی 
یسک رسک ےک ایک بار الههكم التكائر بك ؟ (قی) 
یی ایک مرح سورة وكا ب عن سےایک پرا رآ جو لكا وابشا > 
سور تک ۳ وك 
حر ت فروة سیخ والدصاحب سے ددای تک تے ہیں وہ فر ماتے ہی ںکہ شی نے عون یکی کے ا 
رسول اللہ كول یبای تام سک ری سو ست دقت ا سکوپڑہاکمروں۔ نکر مم 77 ےٗ 
فرمایاسورتکافرون بذ ھا وکوک یگ وہزاراے۔ (تذک) 
ایک اور روات یل ےک مور زا زال نض فق رن ے سور اغلا تل ت رآ سك مساوق 
> اورسور کافرون ری رآ کے براہردے۔ «ززی) 
سورت اخلا کی 
حر ت ال سے مر وک ےک یکر یکا ارشاد ےک تق نے برروز مومت قل هو الله احد 
پڑھا ال کے پیا سال کے سار ےکنا مهاف وما يل گال يلول قرش ہو۔ (ترزی) 
رت ال سے ایک دوايت سک بکرم نے فر راي كرض نے سو ےکا اراد کیا روہ 
سیر یکر وٹ پر لی شكيااوداى حالت يبل ا نے ایک مومت قل هو الله احد بذ ها وجب یامتکا 
دن »و اتارک وتھای فر ہا ۓگاءمیرے بنرے! ای یرگ ہاب سے ہو تے و2 ج ملد 
ماو (ردی) 
معو ز من 
١‏ ہین عا مرن رماي كا شل ايك وف ٹیک رم سل ال علیہ نلم مکی تع .کے اور الوا کے درمیالنا 
کر الاجائ ف م كنت نی اورشد یداندھیرے نے ڈھان پ لاب رسول ال" شوه برب 
لفق وذ برب اشاس دولوں وت لارام بذ دك پاد کے رےاو بم ےر اکل 
بش رتکد خی 
بای رل (ابورازر) 


(0) مرت ۶ق ےایی اوررواییت ے سول ای امل ملم نے ارشاوفر ا 


۳ اوز فل رد بت الاس رمم سس مس 
5 هرت اس مرداہ ہک دو ربت کے سر ل محو و تین سے دما 2 
زا تکر یی اورآپ کے پاتھ لمك کےآپ کے جر انور پآ پک ت یرن تيل ۔(ابن سعد ) 
)0( ححفرت ابن عا ییا نک نے ہیں ارول اللہ نے ارشادفرمایااے ابن عاش کی س ہیں 
ب تروع سے تفاظت نہ تتاول؟ امن عاش کاک شرور تاد کے نیک رم نے ارشافرايايم 
دوفو سور ہیں قُل اعود برب املق اور فل اد برب الناس. (النسم) _ 

)۵( ایک اورمد يث لایاب كم جب يرو ولول سور تال مو" یں آ پات کاورد 
کر گے اورجقات کے شر اور انان کے صد وفیروت تكن کے لے جودوسری دعا باکر > 
سب ووز داب (ا>وەن) 

معوز كان ول دی کر يم چاو کے ان کو زا لكر نے کے لئ ہوا ہے اس 
نابرق نس مک تھا مآفات ہآ سیب وحات جادواور بدا ات اورالساٹی ما تروعضرات وح دات کے 
زاس ك اكير سے ای ك0 شام یسور يذ کول عل دم کے وم 
یرف سوق ان تا آفات سے پل جانا سے لخد کر اش علیہ ںیلم شیف 
مکی اوراس کواہں کی حل مکی فرام فر مادک ۔ ای ک1 مان ل ہے اس يب لک نا چا ے درج بالائماام 
ام تیف تور ہاں اون ادرک معدل ددايا تال ل ۔ 

عدرل آيات کے وا ص 

رآ ن ی مک جندسورتل سكلا برق دبالف امرك ت کہ ایک م ریک اس سے یط م وکیا ے نیز 
أن سه وی فشاك لک بھ یحض را هگا ے اب رآ ن یمک چندآجوں سك چندفو اک طاحظہ 
92 
0 سور )لبق رک یآ خری روآ تول امن الرسول ان عد یٹ لآ يسك خض ا كورات 

هوت يذ دک بعري رونو ؟ تیاس کے لے ( ہر بلا سے )کان وجا ہیں۔ 
نس ایک مد یش كلاذ نآ ما نکی پی راکش سے يكل اش تھاٹی نے ای ککتا کی ےای 
ماسج دوا تل اج رکرسور) رت لکیا جل كنيل ہے دو تن دن کک پڑگ جا گی بان 


رطان سآ ےگا۔ (تزی) 
2 طفل للم مالک الْمْل توتی الملک مَنْ تشاء الخ اتا رانک 
يت ٢٢‏ ہے الآ بتكو بض ترچ قرو سر شاك ادال کے لے بت جرب ےار 
کوٹ یٹس روزان برا کے بعداول رآ فرش ورودشريف پٹ كرسات مرت آیت پل روزكل 
پڑ ےک انا لديا ی دن لود ہونے سے يحل يحل ا لكا ظا ہرہونے له (طرای) 
۳( یشم اللو مرها مسقا نوی فود جيم روص وال ره 
رض جمِیْعَاقيْضتة يوم اقام رالسنواث مطویات يميه سْبْحَانَه وتغلی عَم مش ركو ن) 
يدوا ایی جن لاد وقت بک سق زوين سےکفوظارۃ کے (اەن) 
(١‏ سور ةكبف کےآخرش لآ بت وان لین امنوا وَعَمِلُوْاالضْلحتِ کانث لَهُمْ جنث 
الْفِرْدَوْسٍ زلا این یا لا یفن عنها وکا ہہ چا ری ہیں خض ا سآیت لیر 
سر تکک چارآیات يدس كا اور رده ےکا کے یا اللہ كرات کے فلا ل وت جا گ کی تون عطا 
7 -اشتا اک وت ال اد ياهال ير بت لگ نک ۸ ہرے۔(داری كوالمانقان) 
(۵) 9 لا إلة إلا انت سُبْکانک انی کنث من الطَالِمِيْنَ» وض مصیبیت کے وقت ال 
اتاو رڈ تا نو بای بک مصبببت كك دور ہو چا ۓگی۔ (رزی) 
0( 1 عْوْدُ یک ین هَمَرَاتٍ الشيَاطِیْنٍ و آغرذبک رب آن يَخَضرُوْنَ)) 
سے خيالات اورشيطالى وال وساس س4 جنل جائے ارپا تک اه ده 

مم تک ےھر خاش تاد ہیا که 
میمصت گرا 

دی گر داب آۓے من کا کی چاے 

نا ےآ دوزغ شی جائے جن س کا گی پا ہے 

مرینان گناہ کو دو شر فيض می 

بلا مت دوا ۷ أ نک کا .کی پاے 


3 


تھا ی ہم س با رآ نک برکات سے الا ءال فر ا _ 20 


اہ سس ري از فان 
شرا 1 ۳1ا۱۹ ہن ری ۹۵9۵ء مھ ینہ جائع دی روڈ ریق 
مرضوج 
فضا ل رهضا 8 
مم اشا نار 3 
اه لین انا کیب عَليكُم ليم ماكب على الین ن قبل ملم 
نرنه دود فْمَنْ كان منکم مرنضاوعلی سَفرِفَدة من يام خر 
(سورہ بقره ۱۸۳) 
سے یمان دالو م پرروز فشک اكيا._ج تفر کیا کیا تھا تم سے لول پا برجي گار مو جا تق 
کے چندروز ہیں بجاو یتم ل ست يامساف موقاس پرا نکی ےاورونوں سے 
وقال الله تعالئ شهررمَضان الى ال هرن هی لئاس وناب من 
" رمضا نک مردوه سل رآ ن اراگ ہے جولوگوں سك لے رایت جاور رشدوبرایی تك رون 
یں اورقن و ال مش فيص کر نے دالا ہے '۔ 
ن سَهُلٍ بن مغ رَضِی للع ال ال سول الله لى الله عليه وسلع فى 
ْج لماي اباب ماباب یُسَمی الا نیح امن 
"سبل بن سعد شی الل عت سے روایت س هک رسول ار الہ علیہ کم سے قربا کہ جنتٰ سر 
داز ے ہیں ان مس سح أيك درواز نامع ریا ہے اس ددوازے سےصرف ولوك دافل مول سل 
روز ددا نے ہوں گے '۔ 
كترم مار !! 
اعلام ے 7 بنيادى ارکان لت چوتھارکن رمضاك البارک کے روز ے ہیں ۔رمضان 
کے روز ےھ مومت سی فرش ہو وق رآ لیم عل روز ہک کی یآتوں می لک یگئی سے 
ارآ ون میںمسلرالو كور وز ہ رک ےک گم دی کی سے احاد یث قد سل روڑہ کے سائل اورفضال 


على خطيات a»‏ فضا ل رمضان 

بہت یادا سے ہی ںا رام 2 ال دوذ وك فرضيت پا تا اودابمار >اى كول : روز 
کی فرضی ت کا کا رکا ےو و وسلا نکی ر ہکا سے يلكا فر ہو جاتا ہے اورا ر روز ہکا رات از رز 
وال یکافر ہو جا تا ےتور اکم سل اڈ علی لم کے سو الا ها کرام ٹیل ایک گی دز ہخو کڑس تھا نان 
ع كول ما زی تھا اور کول داز من اتھا۔ 

جب رآ نكر روز هک دیا ےاماد ےق روز مل اكيدكر ل اما امت الك اكير 
کرت ہے مار سکاب ہے اپ لاوس ب امامت نے اكوايناا ےا ر مکل کے کک 
يبل ديا كرده ال شم نان فان الى ماتا یکر ےا رایک جوان یاس ےک شا روز یں ره 
ادا کامطلب ب ماک تال ا لک کی اہی ےج مكا مكلف بالا سے جک اس میس طاقت ل 
مالا اتی سل و لكوان 1 طائك ے بو ال دیاس معلوم بہواکہ زو جوان روز هرک 
یں جا ہتاے ورنہان ارک ےکا پپری صلاحیت مو جود ہے ۔ یہ یا وکنا اہ هک قاس تک عت انان 
رامو اود بحب تلم لت مره اورد ین الام مو جود ر ےگا 2 یل وه استعرارءطاقت اورثوت 
ت سک کی وچ سے دورن اسلام پگ لک کے نان بات مرکا کت ند ہونے کے 
دوه ےکک ےک کے یل فلا لعباد تک طاتت الله نہیں رکی ہے طاقت اتا ی نے سب لیے 
ابت برش غود چون رین اسلام ےا ال تس ال اتا ےک جھوسے رن مرب 
لل ططاقت ئل مر ا سک با سل جلاک نگ تین ور یت مل موجود ےک 
ددس ںان بتک هنک ہیں دمک ں کم ا کف کرک یقت رب 
يتك لكيش پاہتاصرف بہان نا تا کشک اراک رع کی ےکر يكرتا ےکہ 
مال کم تكرت ہوں تا تانق ذات پآ دوس کے ہجائے اسلام پا جاے۔ 

شیر | 

مودت بقره دل رمضان روز تانق ویس اور ہیں ان شی ے٭ ضک یرل 
كرنامنا سب وا یاد پچ سودت ب رمک ري لن موجن رھ للع یک ہے چنا رام 
روزم سے تلق ہے جوارکاان الام یں وال اولس کے بنروں موا ستو انیت یشان ]> 
ال سك کیراوراہتمام كالفاط کے اھ میا نکیا گیا اور ركم تفر آرم علي السلام کے زا نے سے 
اب تک برابر جارك د > لين ایام ل اخسلاف ہوااوراصول تور سا میس جوم رکا کم تی روز اک 


کی خلت ۳۵۱ فضانل رمضان 
ک ایک بذ اركن هد ی شش روز ےکونص ف برذر مایا ے انرم ر ذز ا سة یں - 

شق روزہ ناك مخ بات سے رو ک کی عا دت پڑ ےگ فو برا لوان غ جات سے 
جوش ترام ہیں روک کو گے اورروزه سس لض سک قوت شبوت میں ضع فبھ یآ ےگا واب تم شل 
ہوجا ٤‏ گے بڑکی ست روز ویش کی وس مشک اصلا رح ہواورش یت کے اجام جرف سکو پھاری 
معلوم ہو تے ہیں ا نک اکر کل ہوجاۓ اورم می جن جا 5ء جاننايا س ےک >بودونصارك پگ رمضان کے 
روزے فض ہو كر ابول سف اپ خواہشات کے موا ان مش اپنی دس سوت لكيا تو 
”لعلكم تتقون“ شل ان ر ے یوک ہکا ے سلا و! :فال چو شی انل مود 
مارگ ےا ام شل ڈالو۔ 

جن اہندمزیوفرماتے ہیں 

سن چ روز ق کے جوز یا دگل روزه ركحواورا ال ےرمضا نک ہر رار ے چیا اگ یآت 
مج دع البندعز يرف را ے ہیں :رای مرت مس کی اتی لت اورقر ماد یگ کہ جو یار 
ایا رک روز و کیٹا دشوار ہو یا ماف ہوقذ ا لکواخحقیار ےک روز سے شر سك اور حتت روز ےکھا هات 
رشان ےسوااوررنول یس روز ےرک نے خواہایکسا کم با سل 1 

جع ریم طراز ہیں :رث آیا جک کف اراک اور رات ارال س بک ول 

رمضان ی عل ہواے اور رآ گرگ رمضان کے چو یسوی رات شل لورع كفوظ ےآ ان سب 
یک تھ بھی میا پچ رتھوڑ_تھوڑ ہکر کے مزاسب احوا آلب پرنازگل پوت با اود ررعضالن مل ضرت 
برل علیالسلام بل شد ہق رآ نآ پل الل علیہ و ملك رسناجا ست حك »ان سب عالات سے ہد 
رمضیا نکی فضیلت اور رن مید کے سا تا لک مسبت اوروصت خوب نا جره وق ال لے ال سب 
مس تاوت مقر مول بل ترآ نکی رمت ال مين خو بك ل چا سب راک واسٹے مقرر اور من 
اسب (فیرعلس۳۷۳۵) 


روژول اث ارا تس 


سب سے اول سبي با تخوب ز شی کرلک روزه تکام درا شام 
دات سے رتست ال ہوا سے ہ تناکا شتا ري 
ات ذ ا خن وک ہم الل تدای کے بندےاورغلام ہیں غلام اور بن ےکوی ثب نکد ہآ تا کے احکامات 


على خطرات rar‏ فضا رمضان 
حا كي اكر سے و وکاب سب جوم وكا اننا یڈ كا حاتم ابش تیا کے تن ادا تك 
طرن ثرآن وعرييث ے اشار ہکا تم انكل وضاح تكرعة ہیں جس طرں الشدنقالل کے بن 
كارا تكطتول برق ہیں ای طر روز ہل جنر تيس یں ملا حظمكو- 

)( کت بدن کے ے روز يراكم رت کیکفت امرائ کت طعا م سوبس ہیں۔ 
(۲) م لارلرگو ںوچ ب ہمد روک د ینا ےک مکوایک باه کے روز ول یں نسل طررح پھ وگ اور پیا 
نے تج کیا نريب لوكو كواى طررح سا روک اور پیا س کی ككل رک ہے لہاان کے بار ےس 
جر روات سورج اپنالواورا نکی یرو کے لس کربت بوجاء ی وی یک حطر ت جنر إغدادى تت مر وی مس 
کک کی ب کم لبس کے بابر کر یٹھ جا کے ت ادر ما اکر ے کک بخ داد ل سب نر یوں کے يال 
گر مک ڑا ہو یں اس لے ںان ےدک ور درو لكر نے کے لج اورچذ بمادردى پرا کے 2 
لئ ری ہوا ئوں مس بیٹھ پا جا ہوں »بالكل اىطرر] روز دمالدارلؤ رييبك مهرد یکا احا ی ولاجاے۔ 
(۳) ساوات اسلائی کے لے روز ایک اک مود جك رسب امي روف رايك بی ريك ڈ نگ پآ جا 
نے ہیں۔ 

(r)‏ خواہشاتفساحراوگہوات مساح ينول اورقابوکرنے کے لج روز و یہت يكل ہے۔ 
)۵( روز می جنک مود م جود اپ زا روز کے عاو مسلما نس بھی مشک لکوسیے شل زیادہ 
چست اورلو ی ہو سے رہ اک جباد کے میدان ٹیش دودود ن ت ککھان میلس یں ہوا سے وبال روز ہکا زا ده 
طا مما ہے۔ 

(٦‏ که که سجس ال قاب بپ واس ےکک قیرط اصلاح ہو جال ے 
زان کان ال اودر ضا ہشیت ان تاو آ جاتے ل ادا یقاب تب 
(e)‏ 1 بی نخال فک ام ارس اوہ برداشتکامادہ پیراہوجااے۔ 

0 نت رلک( بل چاچ 

(9) ہک و ےلاو سك آم مم یس برعق و ںکیوکہ افطا رکیل اجن ہوا ے جوم 
تب گت ے۔ 


4 روز کے ل سے انان اشامت نکی پان اوم دض اورڈ نا عاد بن 
وا یات 


می نطيات rar‏ 


د رت کے 2 : 
روز ه کے فضا ل ر جنداعاد یٹ 


وَعَنْ ابی هريرة قال قال رضول الله صلی الله عَلَيه وَسَلم اذادذغل رَمَضَانُ 


4 


29 
ص ںار ان 


فیخث راب السَمَاءِ وَفىُ رون يحت َنْوَابُ لجنةوغلفث واب جَهنْم ونلسلت 
الشْبَاطِيْنُوَفِىُ روابة فیعث باب الرَحْمَة ٠.‏ ربخارى وسلم 

رھ ریت الو ہررہ رگ اشعدیروایت ےک رسول ادص اند ولف RYZE‏ 
جب رمضا نک بي شر موی ج ےل ان کےدرواز سكل جاتے 5 ایی روات ۰ ےک 
جت کےدرواز سل جات ہیں ایک روات سب ےک رصت وراز سكل جات میں اورم سے 
درواز بد ہو جا ے ہیں اورشيطا فو کو با ندهلياجا :ا “- 

تی يلل کے موا تع فرام ہوجاتے ہی ںآسمان اور جت کے درواز ے تزول رمت اورکی کے 
لے جات ہیں مرت لك بارش شرو ہو انی سے بای کے رات بتر موی ے میں اوران راستوں 
کی طرف بلانے وا سمشل اور بڑے بيطا ت رک 2 جاتے ہیں یھو ۓے خيطان اورانان 
اننس انا نو رغلا ےکاکا م جارک کت - 

ایک روات ٹل سلجت کےا درواز ے ہیں ال ل سے ایک درواز ےکا م ریات" 
]شی مرا برس والا ے ال سےصرف روز و کت وال دا بمو کے حص رت الو ہریڈ سے ایک 
روایت ےک حضو رارم نے فر مایا کانا نک سكل کی کے اظ سے د نام ھایا جا تا سے سات سوک 
ھی بحسلا ےکر روز ےکا ماب الك ے الث تقال فر اس ہیں ده میرے لے سے اورس تیال 
کاب دو لک کون رك وجہ ست دوز و دا رگا اورخوا مكل رك كرحا ےکی روزہ یش ر ا کار یکا امکان 
نیس یا یک روز وکوئی مشرک ايخ بطل معبود سك ےکی رک اکر ہے نو رای عبات سے جواش تقال 
کے لے ناض سے لبذ ال لی اپ شان کے مطا لق ا کاب فو دعطافرمانخیں گے اور صرف الش تال 
کومعلوم > کر روز ودا رکو ظا مرك اور پا یرف ی ی لبذ اد قود بدل رع ط اکر ےگا بل گی کے 
کروزه کیٹ اب کے بد نے می فود الف تال اورا لک رضااس بند ےکوعاصمل مو چا سے ۔ 

ای روات لل مر ےک روز و را رکودوخوشیا تيب مول یں ء ایک و افطار کے وقت 
اورایک تیال سح طاقات کے وتک اورروز ودار کے خالى پیٹ او روگ و پیا لکی وج ے جوخوشيوال 


على نطبات rar‏ فضال رضان 
2-3 ے وہ اتال کے بال مكك وگ ر سے يادو خوبودار ہے فر ما کمروذه هال ےشن 
دوز کیک کے ے ذعال سے جب کک ےڈ ھال سال دشن روزه كول بے قاعدکی سے ال 
کو پاڑددے۔ 
اک روایت ٹل کہ جبم می سے 7 كاروزه ووس )کشو نكر اورشور وشغ زر 
کر ری نے ا کوکا ی کی وی نوي جواب میں سل ےک می راروز ہ ہے ایک روات یں کوش 
لیلۃ القدر رس يكروم داوم خر سيروم بو یف روابیت يبل ےک رمضا نکی گی رات شش 
سر شيطان با تاھ د کے جات ہیں ٠م‏ سك دروزے بند سك جاتے ہیں اور ج کے دروا سکول 
دس جات ہیں تاكول درواہکھلار پا اورت جن کایندر با ہے اور ہررات ایک گار نے دالاپکارتا 
سا کے وا لے گے »وراه برا یکر نے وانے !اس برا سے رک جاہازآ جا۔ 
ایک عدييث مل ےک ہف رآ بر اوررعضان بن ےکی شفاعح تک یب کے روز ہ کی گا اس 
مولا ٹس نے ال تم سکود نکلرکھانے ہے اوخوا شات سے دو کے ركع تھا اب ا کے ارے میں مرگ 
شفاعت ول فر ا رآن بجيد ليك ٠‏ مولا !ملس ا كورا کی فیس روگ رکھا قیاع رک شفاعت 
اس سكت میس قبول فرماء جل ان دونو لكل شفا ع تقبو لی با گیل روايت يل ےک رمضان 
یش ایک فرش تر کے بداب اور فرش كور سج عل جف رايا رکا ینہ سے اورصبركا واب جن 
ے #وارى اورم ردك کا ینہ سے اورال یس مو كارزق بڑھایا ماح ےس کی روژه دار 
کرافطارگرایادهاس كنا ہو ںکی مغفر کا ز لہ ےک اوم سے ھکار ےکا ہب ےگا اورا لاو 
ھی روز و داد طررع لواب لگا ۔ الما ینہ ےن لک او كشره رتت ے ءا لک دوسا كش ومغفرت 
ساو يراعش ردنم سے يكار سهكابروانا ے۔ 
ایک رواهت ٹل سکم جن تلوس کر ہے رمضا نکی وج ےم رگ نکیا جاتا > ايل روايت 
3 کہ رمضا ن یآ خری رات ںتحضور کی ام تک مففرت ہو کے جاک اسول 
اشر( لاش وم ليلة القد ر کرات مول تور نے فر ما یا یں بل وج کم زدور جب 
عردورکی سے فا در ہو جا تا ادا لکوردوری دک چا ے_ 
اتال یی رمضاا نک کات سے الا با لنراے۔ آمین يارب العلمین 


على خطبات ۳۵۵ فضا ل رعضان 


مضفعت ایک > ال توم کی قصان بھی ایک 
ایک بی سسب کا نی »د ين بھی ع رمضان بھی ایک 
م ياك کی اللہ کی قرآن بھی الب 
کچھ وی بات تھی ہوے جوملا یکی ایل؟ 
اعاريث 
ال سول الله صلی الله عليه وَسلمألصِيامَُلْفرآ يُحَقَان لب 
(مشکو ة المصابيح ۱2۳/۱ 
ال مول للہ صلی علي ولم كل عمل لاعف العَمََةبِعفر 
مثالا إلى سَبعمائة ضغف قال الله تقلی الاالصره م ان لی و وانااجز ى به. رحواله بالا) 


قال زسول الله صَلَی الل َلَيْه وَسَلّمَ ولخلوف فم الصائم اطيب عندالله من 
ريح المسک. (مشكوة المصابیح ۱2۳/۱۲) 


على ‌خطبات ۳۵1 اال رمضاان 
رمضان ۱۳۱۹ ے2۱۹ ری ۱۹۹۵ء دیدما کچد ما رو کرای 
موضوع 
اعمال رمضاك 
انار ارتم 
قال الله تعالی طشَهْرُرَمَصَانَ الّذِىُ ازل فيه رن هی لاس 4 
اش تھا یکاارشماد ےک رمضاك د بيد کل يلق رآ اج یاج جولوگوں کے لی ریت 
وعن ابی هريره رضی الله عنه قال قال رسول الله صلی الله عليه وسلم من صام 
رمضان ایماناو احتساباغفرله ما تقدم من ذنبه ومن قام رمضان ایمانا واحتسابا غفر له ما 
تقدم من ذنبه ومن قام ليلة القدر ایمانا واحتسابا غفر له ما تقد م من ذنبه. ‏ (متفق علیه) 
ضرت الو ہریرہ سے روات س ےکور کرم نے فر ا کج ق نے ایمان کے سا تو ا بکی 
نیت سے رمضان کے روز ےد کے اال ےک شتا مكنا مهاف کے جا نبل کے اور نے ایمان 
كسا تو ا بک غیت سے( راوع ل ) رعضا نکی راقو نک قیا کیا ت ای کےگز شرا ندموا کے 
جا نیس کے او رجض نے ايمان وقذا بک یت سے شب تدر رات چا کک رگ ار تو اس کےتا مکنا 
مواف کے جا جل گے 
مطلب یک رال نو كر لى اوري یعادت ل ال کے رہ وکیب روس بگناو وال 
نے يبل کے ہیں کش دحي جا میں گے .اود اگ كبا ےا رگ او صفام ان عبادات سے بش دسي 
جا قل گےاورکپائرکنرورہو چا ہیں گے, 
معز زس| مین :ا 
ال تال ىك نظ رک رم جب انسافوں یس سک انان بل ہے و دہ انان تام انانوں یش 
ال متام فائز ہد جاجا سے بحب ایا :کر امم السلا مكا مقام الى نظركر مك وج ے سب ح الل تاچ 
ای ط رع اظ رم بذ نے سح لول کے وار ت اورعلاء بن چا تے ہیں اور ولا یت اورگرا مت 
کے عالى قا م فا ہو جاتے ہیں کیش ررم جب انان کے علا وی خط ز من ب يذل ذو وحص با 
زین سے متاز »وتا شلا بیت ای ریف کے مارك حصہ پر بای توه رعاب طاہرہ اوراشرف 


على خطباتکائل ۳٣۵‏ رمضان 
ا رع الاش منکیم رکم جب یت رورم یا ا یکی شان عالی شان ہوک من 
نویر یا ان نش منورہ اور تگاه یآ خرز مان بل نیا ای ط رح زج نکی مجن تصول پر 
رک تک اه کوئی حصہ رک صورت مل نامرج داكو مر سر همقل میں 
ور یواک می لگاہبرکت اور گا و ز ت ونم تی ذا نے مذ یتو وہ زانیا ز مانوں ےمتاز 
ہوکیا خلا جب زگ كرم ماو رمضان ب بد ى نو رمضیان نام وں سے انل تر ار با اور جب كا گرم 
رولب یکره رمضان اوركثره زی رام رون ے أضل 7 ار ۽ سے اورجب ررمت 
وول یڑک ومعات اورکید إن کے ایام سب توت اض ہے اور مب یع رکرم ساعات 
كنول ارات بر جع دن أي ككترق ضف شبك ای كرك :شب رن یک خاش 
گھڑی ,قي ليت دعا کے لے خاص خا اوقات بن گے اور ینہ رصت جب راتو ں ب يذ ى وليل القدره 
يل امع راج ,ليل نمف شعبان ی راس سار نو كي ل ںاور جب یرنه يهار ول »چاو اور 
ميا نول ب یڑ مارا می را ن عرفت طورسبزاء عزدلفہ وك تج راسود اورصفاء ومروه تب مقاما ت مقر سم 
و جود سل 1 گے .ہیں بركات اور رت نو بل سیک باه رمضان ےو کے !ند رگئی ا کے ایال 
ال چنداعمال ملا حظفرءا ہیں ۔ 
رمضان اوح 

رمضا نک تر او کے ے احاد یٹ مق شس تام رمضما نکالفظ استھا ل ہوا تاو سنت 
م كده س اور سک یکل ركعات یں ہیں اوراى اقا تما مس اورقا معلا سلتا ولف انا ہے 
خوتضوراکرم نے کیل ولیک تا م رمضم ن بقاعت کے سا تھ کیا اد رپچ را 72.7 کگردیا 
کی او یش نو جا لا حرج تھا رتو ارم کے ب حطر ت رسخ تام کاب کے 
سا ست ایک ام رام کیرش كعات كاك د سے دیا صا کرام یس سكاس ا کار 
يلكي پک سپیکر کے اس پگ لک کو تاور بجع عق موكيا اذا جاو 2٣٥‏ او کا 
اکاک ے ہیں وہ تقیقت میں تفار امت کا ارک کے ہیں ہما کے بعد سلف کے دو ر٢‏ مین 
اوري این کے دور کسی ۳ اسك زا رک ںکیا تو يق لوکوں ےگ ر نے او ریت رز مانے ےم 
سے کے بعر چن رکو کی ركنا یروت رفا ردق تور سح به 
دپ شا پا کام رام تک م سکن ہکرت کر کے باشو اک کول ان 


ع٦‏ ی خطبات 8 ۳۵۸ ا مال رمضان 
تاک وب ےآ نے عام اطا تر او گر درو ںکواس پر فر ایا یز رر کے ا 
حضو راکو فر ان مگ میخض لت توا 3 

بی وه الْحُلَفَاءٍ الرَاشِدِينَ “ ميرىسنتكوايناةاورغلفا 0000 
مخبوٹی سےپلڑو۔ 

اس حریٹ نے حطر ت عرز کے الک لکوت ونی اورشرق حيثيت د ے دک لبذالوكس کے 
ذ جنول شس ر اوت سے تح تش وايش پیدرار نے کے بجا لول ير اكرنا زیادہ مر سے ۔ جولو فآ جر 
راو اٹھ رکرو ںکو جل جاتے ہی زوه بارہ رعت عادت ےکی کروم مو گئے اوروت کی اکت ے 
بھی جردم ہو گے اور رآ ست روم ره گے اور عا م سلرافول کے ےکی تخو کاب عمش ہب یہ 
کوئی چا کا نیس سج رما ت او کے تاق ری بھی ہیں اور دم رض بھی ہیر در نکر 
ب عت املال اورطوالت سے اس سك ا ويمور د امول تر او ھا عت کے اتم دورکحت پڑھنا پا ہے 
اور جولو گھروں بی چا را رکی نی تك کے بڑ ھت ول ووكق جام سامت اوركذا ہہت ہآ بست بذهنا 
اجکی مگ عرد وراک ےکا متا لال ہے بل رعبادرت ہے الا ا وی سے بد حاجاس ور 
بکرم رآ ن بھی »و 

27 


لوک عا طور رشان مس زوق کے ہیں يلول ضرور ىل يللم مال پر جب کی جو لان 
حو كذ رجا ۓ تو زکو ة وجب موجالى ےت تم رمضان ل چ ایک ف ريست فر الك بذ مات -> 
و ركو لض اس مقصر ے رشان عل 6 کاب زياده ل7 وکوئی مر ثيل .بر 
مال ترص کے ذمہ پک ہوا کو چا کہ دمضانگذرنے سے پیل دی ادا دے۔ 


صدقة الفطر 
فان اعمال میس تایب ل‌صرود الف کا اواكرع ے صرق الق ر ریو ے بڑ ےہ 
شور تآذ او داجب یرگ فیس کے سے يبل يبد صر تدغ رجو لود دا 
جاس کرد و رل وکر ای رن فی اور مسلرانوں کے ات میم میں یگ کے برا ذم 
سكو الى دیلک طرف سے یدق اس .بالخ اول دورو ورد سار كسك 


رخات _ ۳۵۹ اعمال رمضان 
صرت الفطاداکر نے کے کے زیادہ مال ون ےکی رور کل اور تدای شحولا ن حول ضروق ے بكر 
متمول سابال مو اکر کے استر یا رن ون رودت سے زائ لق ريل صاحب نصا ب فط و ہو جاۓے 
نواراگر ہوگا _صرقه الف رار اکر ۓے کے لے ال نصا بكترم سے .کم نصف صاع کش ایک 
سا مجوریھی ایک صا ارو نض قز یرد يناميا ےذد ايك شی رچودہ اکن بت 
ایک ؟ د لک طرف ست ادا كد أ سا لی کے لے علا موکوا ےکی تمت تس ںکیونکہز یاد ہے یل 
زیادوواب اے۔ 
ليلة القدر 
لیل القدركا 2 جم رشب تد ر ے ب رمضان کےآخرکیمشر کی طاق رانڑں می ايك عالى خان 
رات ے جوایک جراد الال سے بتر ے اس هخا رآ نکریم میں سورت القرر کے نام سے ایک 
سور تھی اتر ی بتعلا ءكاخيال ےک لیا الت درا ل مرگ وت ردق جلو مرکا ےک ہراس 
دوہوں ایک پرےسا لک #واورایک صرف رعضا کک رود موق يركو اخلا ف بل يمرحال ۳ 
زول اورکعمتوں وا ى رات ےتضو راک رم صلی الط علیہ سلم نے الکو کرک ار هک فضیلت بیان 
ا ےہ چنا ہآ پکاارشاد ‏ كنض نے يمان سک سا توق ا بک نیت سے شب قد رکا قاع میا 
اس کے تا مگناہ ماف کے جا نبل گے ۔ ایک اورعدييث شل ےکر شب دک رات یش بی تل 
۱ علیہ السلا م فوشتو ںکی ایک جماعت کے ساد زین پر ات آتے یں اوري فرح ان ولو کے لے 
دما ی با كت ہیں جوا ی رات میں نماز باذک رای شغول ہوں _ 
ایک اورحد یٹ ںآ ی ےک ليسلة القدر/ورمضان کےا خر ى كشوك ا٢و‏ یں مسالاو يل اوركتول 
ارات می حل کرو نیت عا کش فر ای یں ک حور اکر می الث علیہ وم نے فر ما اکہ شب قر 
گورمضان ری شر ہک اق رال بی تلا کرو( متو ۲۳۷۲۱ ۶۰۲۵ے۲۹۰۲) حضرت اين رنه 
اک لين وا ل کے جواب می ف ا اک ليل الق ری رات لود رمضمان یس مول »ریت عاشہ 
7 ہی ںکہیش نے رسول ار اریمس وا اک اک کے لیا الت درل جا عن بی اس می لکیا 
دعاپھوں؟متضورنے راید ماع" الک عفر جب العفو قاغف عَنى “. 
حشرت الى عب نے فر مایا کہ شب فد ر رمغفمان ےآ ر ی رہ میس سے اورپ رس مکھاکر 


5 ۳ مال رمضان 


نر لكي رمضا نکی اويل رات می ہے ۔ بہرعال لیل القدد کے ال بہت اعادیٹ بل 
تی نے حضو اکر مگو رات وكا رق ورد ول کے کی بات پ گرگ وج عو رارم کے 
رل ےا یک میگ ٹیلیا ک تا م طاق رال بل بل بو سکره ره لادک عبادت م خو بن 
كرس رات التھال یکی طرف سے اس امت کے لئے ایک ماقت چ وال ام تک ر 
ہیس ت اندتعا نے ا نکی عباد وکت ناك فقصا نكو يدراف رايا چنا ند ایک دا تک عاد ت ريسا حمسال 
کے برابرہوتی اور ہرسال شب قد رآ سے مان البرک اک انھامات ہیں۔ 
اءاف 

رمضان کے خر یکره اعمال یں سے ای کل ی ےک ايسورل شب ےآ رک رمضاان 
تک ان مساجد یل اعا کیا جاح بن بل ی وق فماز بل جماعت کے سا قح اواك جالى مول وہا نم 
اکم ایک آ و یکابیٹھنا ست ت م كد ه كفا سے سن تکفا یا مطلب ہے ےک گر لور كذ ري كول کی ےآ دی 
بھی تلت کے ے تیار ہوا تق لو را ترک ستقبکا مب +وجا گا۔ 

اسلام مس اعتكاف ساب ادیان کے جاک اورعباد کش اگوی زنری ریبادت 
کوب انون سے وال امت تلد یت اوردرو ہا ال سے اس لے سابقہادیا کیک مود 
اس ام تکود ایاج اک امت حاط ےکائل وال امت ہۓ ء ميرم نے خودیجی دل 
دن ہیں دن اور اوقا ت لورارعضان اعتكا ف فر مایا سے اوراس تکو ا کے خیب گی دک >- 

ایک حد یت بل ےکم گا موں ےتفوظار پتا ے اوراس کے لئ تيكبو لک سل تام 
یکر نے والو لكل بان جارى د تا »رما اعتكا کا وشت ول کے ے ایک من نك هو ہے 
ما لوحا سج كوه به چ کاک مبار کش رہ لگوگ کے حاب سے نکیا لكا 2 - 

مر ۳ 
بڑے فضائل دا لن ےئل روزے 

ان باس فال وا نل روز وں بل سے ایک ایام تل کے روز ے ہیں ی ہرماہ کے تر 
داور يتدرو ”ار قال سک دوز إل -عدعث كل ال کے بر روز هلود روزول کے بابر ارد گا 
سج اوور اكرم نے میم الد مركا نام دیا ے اورا کی تیب دی پر سلما نكوال سے فا دہ 
انیا 2 »لا فال وا كلذ ول شل ست د کرم عا شور وكا روز ویس لتضوراكرم نے ود 


ھی خطبات 


-.- 


ہپ رٹ سس ال ,و لسن 
ب رکھاورام کوت یب دک ای کے بججا ست دوك لقان فر ای مت ۹ اور ا رم ال ایک روز 
ےسا لشت کے تا مكناه محاف ہو جاتے یں »اک ل سے ایک روز دلو رفک کی ے جوسا لگمز شر 
ود گنا ول کے سن ۓےکفادہ ہے اوراى یس سكير الفط کے بعدشوال کے جورو ہیں جوز نر 
پر کے روزوں کے راب ہیں ۔ ال تھا گی تما م سادا نو ںاو کر ےک فو فق عطافر ہے( ین ) 
ترآ وعد بیث 

طسَهْرْرَمَصَانَ الَذِیْ انرل فيه ارآ َدّی للناس » (سورة بقره باره؟) 

اه فى لي در 4 (سورة قدرپاره۰ ۳) 
لین متا کیب علیکم الصّيّام کمَا کب علی لین من قَبلِكُم)#رسورة بقره ياره ؟) 

من کانمن آهل الصّيّام ذعی من باب الريان) 

(بخاری ج ا ص ۵۵ ۲قدیمی کب خانه) 

عَنْ آبی هرن سول له ی له عه سل ال اج نان بخ 
یراب الجئة. (بخاری ج | ص ۲۵۵) 

من صام إيمَاَاوَاحتِسَابًا غف رل ماقم من ذنبه. (بخاری ج اص۲۵۵) 


ھییںٴ ا رل و“ و و وی و و ر 
قال فَاذَاجَاءَ رَمَضانُ فاغتمری فان غَمْرَة فيه تغدل حجة. (مسلم جا ص )۲۰٩‏ 


“می خطبات ۳۷۲ اسلا مک عیرس 
عیرالف ,۱4۱۳۵ جؤرى ۹۹9۵ء جا رماع أ فآ ادر بن باون 
موضوع 
اسلا مكل كير بل 
مرن ارم 
قال الله تعالئ اَم ملت لَكُمْ نکم مت علیکم نمي ریت 
تکم الاشلام دنا رسورت مائده) 
تج ار دن عل نےتہارے لے تمہارے دی ركم لکردیا اور کے تم باينا انعا متا مکردیا 
. اورٹش نے اسلا لها ے لئ طورد بين ليبن دكرليا"“# 
عن مالک بن آنس مسال ال سل الله صلی لیهس ترك 
کم انی آن تلم تمشکت بها کناب اللوَسنةرَسْوْلهِ 2 رمشکوق6 
1 کک بن الس ے مر روایت ے یتور اکر صلی الل عیفر اي كيل تےتہارے 
درمیان وه جزل وک ہیں جب کک تم نی پکڑے رہو گے بر رای ايك ال تی یکی 
لاب أن بجيداورايك رسول انش ی رل ول مکی سنت تن اعاد یٹ ہیں - 
كر محطراءت !! 
تاد رن اسلا ململ رامل بناي ہے ۔ اکس دين کےتھا تو عداورسا رے ضا لهاس 
ندر گی ہی لک بی فور انا نكا كول شع اورحيات اناف کول يبلوال ے با برص عتا کد مولي 
عباداتء غلا يات ہوں با عابلا ست اققا دیات مول يا معاشيات مک ترك ہو تہ بل مو یا بر 
رد مرمرشعبر,حيات کے لئ دين اسلا مل ضابطءحیات ے اوراسلا م پر رم تل کا معتز لول اور 
للد ل ل تي كرت يدل قي مت تیک لو بش رسك ے دتدا یکی طرف ےآسمان ے وق ولا 
2 اسه ددقا لان اسلامتق >ارشادغدادئدى ے۔ 
من يبتع عير ألاسلام ينان بل مه وَهْرَفِى الاخرَةٍ من الخاسرين) 
رال عمران۸۵) 


على خطبات مھ اسلا مکی یرل 


"ل جوکوئی دين اسلام كسد اكول ادن چا ہے ده ال سے ركذيو ل كيا جا كور فز ت میں 
متصان اورضارہ پانے والول عل ے ہوک“ 

شیر !! 
مطلب واكم جب القدكاد ين اسلا م یل صوررت سآ پیا کوئی وال ورين قو لسکا 
بک _طلورع فرب کے بع ری سكل کے تراغ جلا نايا سل ہیی اورستا رو ںکی روشق عاك ريك ضغو 
اور ی مانت سے مقای ولو لاور برایو لكا زر چکاے اب بر رو سب سے يلاق اورا ری 
وروت ورایت سے بی عاص کر فی چا س ےک یہی تام رشو لک اد سے جنس میں بل تنام 
رویشنیال مم ہوچگی ہیں کاس بان 

آپ بزل قاب عا لاب ثيل اوردیگربادشاونزلہتاروں کے ہیں 
جب سوررح لو موو كول ساره رکش ہوک _ (ففیرخن۸ء) 

اسلا مکی اي پ گر کے ٹپ نت رحضور کر مکی علي روم خاتم این رس اور پکی 
امت نات الهم بی ۔نہآپ کے بعدكول ىآ 2کا دنا امت کے بح ماو اص تآ ےکی ہق رآن مير 
تایآ خر یکناب قر ارد ےو یگئی اور بیت اللہ رک قب اورخداكاواعدك رقراردے دیاگیا اسلام 
كاك ہ کیرک کے یی نظراءا مغ زا ن كلها کول اجب کروم ا سے معاشره ل و وتام 
افراد پیر اکر نج نکی طرف لان وف تان ہو جات ہیں۔ 

مش لو لک ایا اكز ءابنا اير ہو اپنا تيام علو باراوركحان موک لمان ان ہوں 
شک غ سلرقو مکی طرف يتا در ہیں املا مک اک سیرک شتا سل ول 
7 کے موا براك اگ ضا لله عطا کے جاک می دی ن کال اوتكمل ہوجاۓ کیل اسلام کے ای 
تاد ے لحت اور تا مساو ںکوسال يل دید يل منا ےکا کدی اور ل می قوق منانے 
تماد کے مرت و پیار سك مكاسك اورويكر خی کے اال کی رجنمائی رای ریت نے 
ملمالو ونس خوٹی ما کد اے خش اور کید بل دو متا لو کی خوشیوں اورعیرو ںکی طرر 
یس ہو ںکیک فی رسام اقوام جوا سے تبوارو امنا ذل اندتعا سے کل بخاو تك متاپ ر مکل ہیں دہ 


على خطبات ۳۹۳ میرن 
خوشاں و حيتت اللہ تیال کی ناف مائیو لكا موص بمولى ہیں ال کا ہر رلك ادد بر بر کت اتا ی ے 
ہنارت مظاہرہ بو ین اس کے بكس مسلمان جوخونی مناة ہیں دہ خوی سل روش ب کے 
ر ہجو لے نہیں ہیں وم يج عیدکی راز سك لے اج کی طود یداه تھے مول اپنے ر بک 
عباد تےکر تے ہیں ا کی پا ورس تک علان اوراخترا فکر .ست ہیں ركيد الفط مل صرق اف 
اراک کے نر بیو لكل یرو یکر نے ہیں اورعيد الا میس اشتعال سكسا سحت تی مقر بای ہی كرست ہیں 
عير الفط لوگ عباد تک کے ہیں اورایک يم عبادت رمضا نک ظری الا ںکیرالا ۳ 
حطرت ارام علیہ السلا مکی مق ريال کات کی طوري یاد ر گے ہیں ءا سك ب دوفو گید ی 
يذ عباد فل کے إعدسقر رم ول ہیں ۔ایک مل رمضان کیا ما رت اورروز ہکا شگراراہوچا تست اوردصت 
عل ایک شی رق با كل یات زه موجالى ہے باد تک بنش يبل دلول شل ٹھ اکر مالس 
مناس ككل ديا ہے پیت کے دن ہیں اک لے تال نے ان دفو لعل روزه رك پاٹ مکرنے ايك 
پرائ ةكس بن کون دفر مایا سے کش ری صدود ل هلق مناخ كات دیاہے۔ 


یر نکی ابت زا ل طررح مول ؟ 


رسول اش الل علیہ وملم جب یدمنورہ یٹ بجر تک کےتشریف ل گے ابل یناپ 
سابقہدوایات کے مط بق سال کے دودفول می لكي كود یش مشغول ورن منا اکر تے ے اس میس یک 
دن و رو زک قادو سرا برجا نکاتھاء چنا خی خرت ال سیا نکر ے ہی یک ج بتضور اکر سی ارڈ علیہ و که 
کرم ہے تک کے بد بیٹمنود ونش ریف لا ے ال وت ال مد ینہ نے ا ھی لکود کے دون مقر 
کرد کے ےآ پا( دک ھکر )لو چا کر يدود نكي نل ؟ میا ہہ ےک کان دودنوں تم 
زمانہ جا میت سکیل اکر کے تھے خضرت سی ارا علیہ یلم ےرا )کاش تال نے تہارے لے ان 
دودنوں کے بر نےان سے ہبتر دود نتر رکرو سے ہیں اورودكيدا لاق اورعير الفط سك داك نل -(الوداد) 

۱ 62 

زا جا بت نل الل مد ینہ کے بال خوك منانے کے لے دورن مقر ےجنس میں و واہواحب جا 
نول دسج كال می ایک رو زکادن تھا اوردوسر اہر جا نک تیا :وروز کے دن سور کل رجات 
ہے ادلم رجالن کے دن بدن میزان مل دا مجان چ ان ول جوامعترل بول سے مز وگو 


على خطرات ۳۹۵ .الا مگ یری ٠‏ 
وا دن رات برام ةدجاس إل ایک دن مالس دق تآ تا ہے دسراموم بہار کے وتا اب 
بس کے لاء اقلا مس ان ع دورو ونوك کے مقر رک تھا ۔ابنکراۓ اسلام یلما ری 
پات مطا بل ان دول ل خوك مايا كر ے تھ رسو کرک سل ال علیہ یرومم نے اس ےن فرمادیا 
اویل د ن امسلا م سك اصول تپ وروز ارم رجا نکی لا لوفو کے دورن عطافرناد ۓے 
نز عير افع اورعيد الاك - 

مندرجہ بالا عديعث ل یک ا ار ونو ال طرف :وال رص ودش راجت شل ر ے ہے ایک سلمان 
يدن سول یں خی مزا ماس دسا ااخاروا رت ہوا اک یم ملسو یکی وار میں حاض مال 
رک کر منورع سے بت علاء نے فی رم لول کےتہوار لش رک تومو بجسبكفرظر ارد س. جا 
کي را رجض :وروز كلت وق تس نرادن رنه 
(جیا الا دونش نکا طريقدس )لاه وکا رہ وہاچ ےاوراس کے تنام امال تالودموجا ست ہیں - 
تاش ابوالھا من کن نصورثر ماتے می كلا رض ال دن دزي قيس جودوصرےدڈوں عر 
نير مج اك هاده بال دلوال کے رو زکھیلیس اورمٹعائی کے کے ۓ ہو ۓےکھلونے وير ہر یر جا 
ہیں با د نک یکو نکھت اوراس سے ا کا متصداس ر نک م وج ا "مشک اس ور شع کرتے 
دموا اکر یمتققیدوارادون ہوا كفركال ے۲ م یھی مشا کہ تک هب سے کرد ہے 
f‏ وروی کم اوبست راونا منانا شا وروا مشاب ہت سے جونا جات -- 

أو 2ره لاسا سک بض ہوک اورد یال کی کے لے وراک سح وه حدودلفر 

۳ ےکیوکہ اس كفي اعلانات ہوتے ہیں انا این کو یا اپ مل کر 1 
مها روز کے لئے رن کاس فد اناد تکار 
گ۶ زر دو ںل روما تکرام جانے وہ کافر موجاتا > دة الا لام می لکلا ےک ب 
ا کا ااکرےشلاے ساك مكل کے اوسرد ما 67 ے یا انا 
کر ما اسب 

مرچ پالا ما بسن تک نود رتسا كنب نيكس بد ےد ایال 
لے ما لک نتر یبا وی تا كياب کک ے۔( غلا م متا پر ن ۱۳۸ :۱۵) 

لاو لاوما سي ےک دو اب شرليدت ايل ثقانت اورافنے برك سنت ادا پیم شا تک 


على خطبات > یری 
تنظ کر مس او نسم اتو امک قلیر ے الور پاتتا بكر هکلم 5 
ص > لب می توم سول با 
عير ن کےآ داب »فا ل ومسائل 

الوسعير خد رکف مات ہیں )حضو راک مع الف اورکی الاک سك روز جب کیدگاه تر 
نے جات نے سب سے پیل پنماز پڑہاتے او كلدكو ںکی طرف توچ وکر دعفافر ما تے لوک مفوں میں 
ٹیر ارآ لت جہاد ہف گی دس یھنا متا سکوروا نف ماتے اور متا کا کے 
اور یرک واب یتش ریف ےآ کے ایک ال فرماتے ہیں یس حضو را کرم کے سا تک دفدعيدك از 
نگ اس نل اذ ان اقام نیس بل 

حطرت الف ماتے ہی كحضو كر سكيد الفط کے دن اس وقت تک کی رگا وت ری فیس نے 
جات جبککآ پ يحور تھا نے ١آ‏ پ او رتاو فرباتے ۔ایک ردایت یس ہ ےکآ يكير کے 
دن داست برل بد ل کہ جات ےت سے ے ۔ ایک اورحد یٹ نل ہ ےکپ نے فر ايا رض نے 
عیدااگی کی نماز ست يي قررالى نود ال کے بد اورق با کے اور نے جوارے ات غاز 
پڑ نے تکش بای نہک الکو جا كاش نام ب( ربا یذ نكسم الشواشاكبرسكه-الك 
عديث حل ےکآ یاف لئ كما ۓے !فرش ریف نہ نے جات اورعيدالائ کے روز زک 

قرت البرک ردایت لس ےک ایک دف ید کے دن بارش ول ترپ یوم 
سس نوی می تيرك غراز عا 1 ضر سل الم رونت مکواس وقت خیاکھا تہ وہ 
ان مل ےآ پ اک یرال ی کی فز جلدى بد اکر واورعي الفط ریش جا رکرو ۱ 

ریت جاب سے روات سک سول اس یرم فر ای کک ئے اورا فک قرب( 
سات آدمید کی طرف كال ہے ۔آپ نے فر ايك ایک سا كى ری اور دش قر بای ش ذه 
داك ال پل جد اوكا وذ نع کی اکرو رت اب نگ سے روابیت ےک یق بای کے ایام یالاک 
کےدن کے بعددود ن تک ہے مش گمیار او پا وذ ایک 

ريت زي كن ارت ددایت ہ کاپ کرام ےپ اکا ےار ے رسول يقر کا ا 
ضور زکرم کی الشعلي یلم نے فر ا ہار ابا جا نع نظ ر بت ابرا م علي السلا مكاطر یقہ اہ رلا 


یظطات_ __ 1 اسلا مك يد سی 

یی ےالل کے ول امم کیاےگا؟ آب رال کے با ایک بی ےی مارنے 
چا راون رگ یبایزاب لےگا؟ 7 پ ذف رايا کہاون کی ہر بال مر ایی نکی کی حر 8 
j‏ اتے مک رول ای الع ی م د قربال کے جافورک ی1ک کان خب البو طررح 
وکیل کرو( کرکوئی عیب ض۹ )اود یدگ عم دیک ہم ال انو رک قر الى کر ی ج کاکان کی ب بل 
طرف ےکٹامواہواورتہ ا جا و ری شس کے کان لبان بش چ ے 2 او ولا یس يك بو 
ہوں اور یں ضور رم في ف رما اک ہم اسیے انو رک قربا یکم یں ل سیگ لو کے + اورکان 
کے ہوۓ ہوں نظررت یت روات ےک حضو ر اکر مکی علطم سیگ داراورقر ردپ 
تال ے تھ جوسياتق مد( حوس ےکر دیا نوق ای کھا تھا[ ا یامن 
بھی سیا وتھا)اورسیای مس اقا ال کے ياو بھی سا )تام عرش لكلو کی بل - 

ی رآ برگورو!! 
سب سے با تسا نمی ےک اسلام هيال اورابری تاتون اور تم ان مت ی یل 

مقت فرماۓ ‏ مر یړ برال اطاعت واتتقامت کی توق کی روعاف نغزاول اوروضوى اتو نک 
رتوا ن بارس لج بھادیا ءتفاظلت ق رآ ن غل اسلا م»اوراصلارح عم کے ما مان مهيا فر ماد ئے ءال 
ككل دين کے بدا بک اورد نك انتاركرناسفا مت ے الام جو خویش وی ما مرارف سے اس 
کے وامقبولیت اورضهاتكااوركول دوس ارام یں ال یت الیو م اکملت لكم دينكم 4ک 
ازل رت ی متسیس کے ايل امت ےا کے نف يبود حر ت کے کی اسه 
راون !اکر را یت ہم یبودپرناز لك ال قاس کے یو نزول می يدمنا | کے حطر تگڑ 
سر کت رورت الک وی دیا ملس 
مره لیاوا کے مو رف کے روز جع کر عصرسل ونت نازل مول جب مرا نگرفات 
ی یکر ی ار لمکا کروم کک پرا سے زار رارقا کے 
رسف اليا پاک رو ز “ضور لديا زر 2 شرع ۱۳) 
ال کی نکی بركات سے ال ال فراع - ن یارب العا مین 


كين و رب مار بنرستان بارا 


سل ون بم ون ہیں مارا ہاں مارا 


مر فى الانت کول ہیل سے ار 
أسان لان مزا ام و شن 
دیا کے بت كدول عل يبلا دہ غاا 
م ال کے پاسبان ہیں ده پاسبان مارا 
يفال سك ساس میس بل کرجوان لے ہم 
جج ہلال کا ے وی شن هن 
مغرب فى وادوں س کی آزال مار 
تتا دہ تھا کی سے سيل روال مارا 
0 سے دب دالے ال آعاں یں ہم 
۶ب لچا ہے 3 نان مر 
سال کبوال ‏ ہے ماز ایا 
ال نام سے سے پل آرام چان مارا 


ار ۳۳۹۹ 


حارو بيت الد 
ek.‏ يي جح جب ب الي سز یں ل سے سے سے وس e ew‏ 


.ارفا ۳۱۵۱۳۱۵ جنوری ۱339ء کچ تام ںای قرشت 
موضوع 
مار بت الد 
مم اران ارم 


قال الله تعلی إن اَل بيب و لاس لدی بِبكَةمُبرَكاوَهُدى لین 4 
بے شک سب سے پہلاگھرجولوکوں کے واسے مقر ہواہے می ے جوک ل سے جويركت ولا ے 
اورجبال کےلوکوں کے ےرات ے'۔ 
روا !! 
ہے ہا کے نش شتا كاك ت رآ ر !> ہے وسط یال وال > هم الدنا س 
دنا کا نا فگھ یکہاجا ا ہے ا شی الا نگ مک ایک يمارو بھی ےق رانا ز ےآ پ سكسا سے 
پیک سکرو ںگا_۔ 
ایک روات ٹیل سك اٹہ تیال تك اورا کے سات كول اور نمو جودنیھی پچ را تال نے 
اتد ر تکام لے ایک مویکو پیداف مایا اورا ی موی پر ایک نكا ڈ لیس ے وومولی سک انی 
»یاب إلى تھااوراو بال د تا كاعر تھا جم کو ران نے ا یط ر فک ریا و کان عَرْسْهُ 
على ماه من یچ إلى ال٣‏ کی قد رت کی دراو پیک رل تھا راتخا فی نے رع بک تاداس إلى 
ذال کک سے ہے إل کھو لے لگااورائل اب لکرخنگ ہیاس سے او يرك طرف ایک دعواں اھ یں 
تال ےآ مانو کو اف مایا طرف رآ نس اشار ہکا وی إلى السّمَاءِ 
ھی دخان تن چلال تھا یآسا نک طرف متدجو جآ سان وتو لطر تاه يال کےا کے 
انگ ہونے کے اعد چ ایی چم ٹک ری ایا ری ول مث سے ز می نکی باد ی »مرکا 
یی جرال بيت اللقائم > كو الور دنا یواک بیت اه کے متنا م سے پمیلادیاگیاءای 
ہے دیا كاوسط یت اس روايات # لآیا ےک راک صہ زی نکا دم دم سل برفرد 
سکم ای سک وع سے رو بيت اش بت رکتا سے اگ یبردایات با وت 
ا از سل وات ریت بات کاس اک پر 


بات کے امتا 

بيت ات پور دياك لے بای - 

رما اش تال نے جب فشتول کے ساحن جفرت آدم کاخ کی بات ث یک 
قفرشتوں نے کیک ےکی غر سے ایک سوا كيا جس ب الث تقال نارات کے لے عم 
لواف شرو کیا کارت رای ہوجاے تین نے 4 لطوا فکر نے کے بعدافرتعالق نےکر ۱ 
کی اورعش کے نك اي كربت اور کے نام سے فرشتو کے لے مقر کیا اورال کے اروگ دطوا بي 
عم دے دیا جنا چ عدت ل ےک وبال رود نے پزارفر شح طوا ف كرس ہیں اورايك بارطوان 
كس کے بعدوويار فى فر شت کا یک ]ا 

آرم علي السلا م !! 

حر آرم علیہ السلا مكو جب ال تھا ی نے ز بی نکی طرف جت سے ات رانو بتروتان کے 
علا رانا یپ يلل آپ ارآ ے خضرت خآ نالب جره ل ارآ اورشیطان اران کے علاقول ٹل 
میا :نرت ]وم فرشتو کل تم« ہوکر بہت ادال ر ے ۔ رآپ نے اش تیال سے سوا لکیا 
کراے مولا! یہاں دنا كول اس والافر سو جو نیس درس عبادت کے ول مكان سب رال 
نے تر مایا كاولا و رک اولاد سے چھیلا ںگااورعبادت کے لے مر ےنا م ب رتم مگردواو را 
کے بعد ا دس کے لے مكان: ہنا ہاں میر ےگ رکوبیت امضور کے ازات میس زین با 
کرو ححخر ت آرم نے لو ھا کہ اے م ولاو هگ کہاں بنا ئل تخل نے فرمایاککہ جہاں سے لور دنا 
كال نے بجيلاديا وى مہ ”سا تک تيرق يرب دی ری تآدم نے فر اا نك ا لا 
تقانری‌فر با »تعاس جرح لوک د اکا اکرا نکوک مم کی پیا نکر او اوراس جک برمکانگا 
یرہش ا نکی ب كرو جنا رت رل راهم كر متش ريف لا سے اور یت الل گی نا 
مادک اور ھر فرشتو تم دک يهال پنیا دی کودکر ای میس بق کرو ں ء جناخوفرشتول کی رل 
م کے ی میت امو دی ماک شش ایک راز ص اکورلی اورا علخ با بو ے قراس یس ذال 
د کہ ہآ د یج ایک ریس اا گے ب م پا پہاڑوں سے لے کے تھے ن ا)۷ 
نان ()طورز ا(۳ )ور سینا( ) جور (۵) جبل تراءء چب نیا راون تور 
تال سے شتو ل :سس تاد سمانوں سے یردان 
1 طرف نماز پا میں اورا ےار طا فک ری چنا آرم علي السلا مع فرشتوں کےا سن لرا 


مر مصروف مو كك | وف آرم علا اسلا “اد از و رن يمال لی جا۔ ا اور ال کے ل ریہ 
تی جو رج كل موجود ے اوردولوں در واز ۓ ز ان نے سسا كر ۹ نیپ ,0 آ و 
سو _- 1 
لسم حیات ھت وو ا سكم کے يال عبادت ای ۵ ڈول تے ١ط‏ شاه "لقال اط ان 
نوج علیہ السلام کے باد ٹیل جب ساب أو بت ور لاڈ پت 0 1۹ ان امام 
5 
اور بيت القدکی تسا ب کی وجہ سے سے می تھے مز جس ا ال 0۰ 
ناب وكياءالدت بیت ارگ موق 00 5 مط 9 5-53 50 ۱ کا SO‏ 
پل لوک اک لہ کے پا ںآ ست ےش ددایات میں تک لم 


سواروں کے سا کے ای کاو تا ہت اب اف یاب 


. ۰ - 4 
خضرت امس رش ماق ای ال دا من 


خر 2 1 ۰ ١ So»‏ » 
بر اورلولو ل" سی ست امام عاے ااا ۱ یج ی ۵ 


5 
۳۹ تب ٠‏ 1 ۰ 2 
ای بی حط ات ہے ااام ار ہے م س © ریہ کی اھ ۰ 


- ۰ 
ے هھ اي رہ »< سد © .رر 3 8 


۰ 
ے 5 2.2 جع اد ے © + a‏ لهو 
ص * + س > 4 ١‏ 01 < 


على خطبات rar‏ تا تا 
رت با جره کے يال جب دان يال نتم مواف آپ نے صفاپہا كاي هروس زک 
کشک ریا کرو کال اور اکر مرو د ہا پر چ یں دہ يال كحلا ع کارا اوھ اے 
شیرخوار کار کیک ںک ہآ یازند گی ہے يالك دند ے كمايا چوک د پال سے ری سآ رای 
رت جم نے دوڑاگاگی اوی رپ ےکی یآ دازقی اور جب سي کے يل وال 
زمر مک نشم رل امد کے نہ بای مارنے سےنمودارہوگیااورکھانے پیٹ کا تتام »یال کے بجر 
عضرت اس تل علیہ السلا م پل پھو نے اور ایک یہ بی ترم شل ا نکی شادی بو - 

۱ الموج بر سرت اب يم علیہ السلا مت ريف لا اورتفررت اس انل علیہ السلام سے مایا 
کش می رنے رب نے ها لاپ عبادت کے لئ کي کر ےکم دیا سرت اس اه 
جواب ديا كما سين ربکا کم مان شتت ضرت ابرا نے فرمایاکہ آپ الق ریس می راساتھ دہج 
آپ نے فرما اک میس ما ضر »ول چنانچہ رل امن مدال کے لے نشانات بتاد ے اور باپ 
با دول اس مق د کا م مصروف ہو گے ریم ذوالقعر وک رقي رشرورع موی ی اور ۲۵ذ وا لقع كو يكام 
کل تک ريت اما سمل علیہ السلا م ارح راد ر ے لے يش پچ رلارے ے اورصضخرت 
را علیرالسلام بفيادول يرد لوار گر اوردوڈو ں تیو تمل اور بک کی دعام نگ رے 
تھے حطر ت آرم علیہ السلا مکی بزیادوں تک نضرت ابرائيم عليز السلا م ےکی ا یکر کی پاد اورچثر 
دای ہنادیی جب د يوادي که وبق مر نوا برا کیم علیہ السلام نے ایک روا را 
کے موکرد لوار یں بنا يل ء چنا هرت اس ال ایک پچ را كام کے لئ ا نے وہ ريت 
خو رکاز سرک مول سکم جمال ضرورت مول جرت ابرائيم علیہ السلا مكواو پر يبح او راو رارم ے 
ای اک ب رکا نام مقام ارم ہے جس می لآب تک ابرا تیم علیہ السلام کے شاا ت ن م لے 
اس صا نظ رآر ہے ہیں چوا رج ے کے ہیں اوردوسما متكت ٹیس بند ہیں - 

عرود بت اللہ 
مرت لیے اللا م نے میت ار تقرف الى ا سک وا ری اورا یکی الا 
بدو طرف سے اس طر ھی ترا سود - كرركن خی لی می ں۷ کزان صل تن ارآ شاک 
رن رل من لیم سای داد سے دوسرےکو نت ککافا ص۳ ٢گ‏ کا تھا اورركن رل تسه 
رگن یبال ک تکفا صل اگ کا تھا اورركن يمال تج را سور لكاذا صل٣‏ ٢گ‏ کا تھا ا کو مز ير وضا ھت 


فلت rar‏ جار تال 
سی سا الى طرحع ج یس کرادت مک ریت ار کچ 
ره عوط مگ ڑکا ہے بج زاب رم تک طرف جنم بی کے روصول بشت ے یک مرکا میا كدر 
بن ری سے رین ال ی باب گر ہک ر فک حص اک کا تھا رانا سر اسر تن زان 
: دك مان بکا حصرهگ کا تھا بالگ يا درك کشر كز ایک نٹ ٹ سے تم ول از دہ ہوتا ےل 

اقح اليو كك باز وای یگ ے۔ 

ضرت ابرا تم علیہ السلا م نے میت ام سل ژ الم ار درواز و لك يجلا رأ 
گھردرواز ال کے حك اوردولول درواز ے زان ے بوست ت ربا شام تيرق ن ےکمڑی 
سكددواذ ےلگا ے اورا لت ل لكا ۓ اور ود میت ال غلا ف ادا - 

ححفرت ایرام علي السام نے ایک مہ بیت الد کے باس الک کی ركه وگ جو بيت الله 
کے ایور وناز کے كوي ان ےکی چکگ ہ چنا جرد +سونے چا نک سے ا بگجھ اھ را ڑا ے٢‏ ای 
١‏ طرح تج راسودکوموجودہ مقام خضرت ابرا نے ت ب ف مایا تھا می پھر جت سےآیا تھا سفی نت گر 
انمانوں ک ےگمناہوں ن کال كرديا طوفا ن فورح کے ودح ججل ایس نے ا كوبلور امام تكفوزز رک تھا 
برل الي نے لحرت ات ماود دیا حطرت ابر انم نے جج راسو كود بوار ييل نصب فرمایاء 
رت ابرائیڈم نے جب میت ایرپ ماب ای هرس ہو گے او را کے 
سک لک کے لے اس طرں بای ااا الاس إن رکم نخدا جو“ 
اےلوگواتھہار ےرب نے اپنا ای كك نايا ےتم ا كازيارت کے 512 - 

چنا نا وا زکوایشہ تیال نے رای شور تام انافو كك بتهاديا سل ن بھی ا ںآواز يه 
بی کہدی وو ضر ور كر ےگا ابرا تم عل السلا مكل يرسك !کشر رابکی بیت ارگ د لیارول شش 
م پل - 

بیت ارت اب را ڈیم علي رالسلام کے بعد 

رئیم دسا السلام کے بعد مال قوم نے بيت کوا رز ریت اي راکو 
تمرم گیا ماب راس کے بحدقیلہج ہم نے ایک کیان کےز مانے می سب ببیت الله 
كرات رال بح دق لش نے اس وت تارج سول الفصسل اند علیہ وم ٣۵‏ سال 
5 تال وتت بیت ایی ار کور کی قري نے چا ہتفای کے ا سكمير 


عل خطبات ا Fer‏ ات یت اپ 
۳7 ریش نے اس مو کیم تاک میت الک ق رکر بی ليان بيت اشرق دیا دول يري ايل 
اژدہاسانپآ کر یٹ جا تا تم اور كوت ري بآ نے نیش دبتا تھا ریش اس دجت ب يان ےکا اجک 
ایک دن ت ایک برت آي اوراس اد کو جوري اوریوں شش اٹھا ہیں دود نے اي ہف ریش بت 
خوش ہوت كد نير میت الیل درکن جاتب ال اجازت »ایک تن ابیت الک دلوار 
.يار ايان يتركاذ کے بعد راب كراى جل پہ چی گیا ریش نے پھر وما س کیک تی ری 
اجازتل جاسے سب کر کی اکا قی رم لم اممکا ایک بی ےکی کل لگا ل کے چنا وليد بن 
مخ رس انش در کرد یا رسب لو کآکر دیوازو ںکوگرانے گے اورز جنک د لواد یگ راک رر 
رر کرد اورقمام بل تر نے اس میں حل بتضور اکر صلی الد علیہ 2ل مبھی ا لتيل 
شيك اوري نے ينف تس اس بش اٹھانے اورپچھرڈہونڈ نے ل حصاليا س» ری راسود سك 
رركت یس قرش کاتتاز ہکمڑا ہوا ہر سردار حابتاتها کہ تجراسود اب جگ پس نص بكرلو تاك " 
میرایادگارر ہے مقر جب تھاکخون یی ہوجائی يان رسول ال اللہ علیہ مم نے سب کے درمیان 
اليا فيص کیال پر سب خوش ہو گن قر نے ا عل ایا تم علي السلام کے تق سے بن شی وتبر لکا 
ایک یک طال پیک هک وجہ سے انہوں ن ےل مکا حصہ با رکھوڑ دی ہے وف کی يل جودائل 
میت الت ہکا حص تھا دوس القی ليا اکررودرواژول سكا ایک درواز وركهااورركن يمال ے پاک درواذہ 
هدیا ترا خی کیک یت ال کے درداززےکوزشن کال وا کدی کرو اس میس ال نہ 
ہو کے پل ےت يل جا ےوتی رال مو 
حضو ر اکر مکی ال علیہ کم نے ج بكر کیا آپ' نے اف ركودرس یکر نے اوه 
نرت ابرا تیم علیہ السلام کے تپ ناس هک تنا ا فرا یگ رآ کوفرصت كيال لى اوري رعبدالله 
ان ہیر نے ان کنا الالوراكيااوربييت ان کے درواز ےز ین موز اور ب تالكا برركرديا 
من تاج بن تسف ےآ پکوشمیدکرد یا او برقال نے ال کارت مقر ولراك ريرق ريل کےطرذ 
دبای تک اک سے پرقائم ہے ایک دددازہ ہے جرک او نچا سارک حصہ باہر ہے »را 
الل سے غلبف ,ارون ال شید نے مس راز توت تضوراكرسصل اوہ علیہ کک مکی خو ا کے 
|| ماب ہنادوں :امام الك نے فک د اک ابي اک نا جا بكوكل اس طررح یادگار بنانے سے میت الله 


‌خطبات._- ۳2۵ رت مت اللہ 
إرشامول کے قول کون نکر ره جات كا- ریک زار کے قر یب کول کے بادشا و سلطان 
فان نے دعصت یر هاچ اورچھروں سك درمیان سفي مسال لديا سے جوفايا ل رآ سے 
ور یٹ میں کا تدوز مانے میں ای کال ی ز لد اس بیت اہب خلہ ص لكر کےا سکوکراے 
اورا کا ايك ایک پھر ہار یچ ےر ادلا فک چلا جا ۓگا۔ 
پر قرب تیا مت کے وقت جب مقدل ججززيل اٹھائی جا ال بیت ار یق کی 

الاجا ۓگااورذرشنے ا للاتضوراكرم کے روز ے کے يال لے اکر ہا بلس دبال یت انفد کی ےکا 
"لام علیک یارسول ال : له حضورقرما میں سك" ولیک السلام ابیت الل ت می رکی امت نے 7 ترے 
مات کیا معام ہکیا اور نے می ری امت کے سات مکی سلو کی ؟ ریت الثم جواب د ےگا کہ فض رج 
رت لے تک کیا ہے ا سکیا شفاع تک می ذم دارك ليتامول اور جوک ج سكا نکی 
خفاع تآ پ پرکھوڑتا + ول میت الل کی تار کے یتآ عل نے ادها اخبا رک از رل اوظیر 
زک وغی رو سے کی ہیں اورقرطور ري كياسب_الثد اقتفرا--آغن- 

عفر وہر سے پاطل کو نیا س نے 

و انان کو غلاى سے ثريا ان نے 

تیرے کے کو جبيؤل سے بايا كله 


۳ باء وہ ارت ی گرم می و 
از - تج ور شط زرا ہو 
سے 
ران وصریث 
4 : او سس مع ناي یی يگ شا تفلن (سورة ال عمران) 


ابع مَتَابَةٌ لاس وَامَاوَانخَلُوْمِنْ نام ابر اهیم 17 (سورة بقره ابت ٩‏ 4۱۳ 
نا عمُروقال خَلَق الله یت قبل رض بای سَنة الخ رالدر المتورج ص ۵ ۱ ۳) 


على خطرات ۲۱ ۱ رت ابرا ت یام تناس 
ین جا متا چه بک رد کرای 


۳ وا ٹ۹ ۲ا ابر بل 21٩9‏ 
موضوع 
رت ایرام عل اسلا م با انات 
مم رن الر م 
وقال اللّه تعالیٰ وَإذابُلى راهم ره بكلمتٍ قاَمهن ط قَالَ إن جاعلک 
َس إمَامًاط َال وَمِنْ در قال اتال عَهدِالظَالِِيْنَ40 2 سورت بقرهم) 
”اور ج بآز یرال سكرب تن ےک با قال پراش نے وه لور ىكش يتب (اوڈدتھا لی نے فر میا 
عل بكرو نک سب لوكو ں کا جوا بولا ری ولد ےکی ؟ فر ایا می اھر ار امو لول چ“ 
قال الله تعالی اذل له ره سم ال اَسْلمْتُ رب این رسورت بقره ۱۳۰ 
دہ وت قابل وك سے جب ابرائي كوا کے رب کہا کم بر دار کرو بول کہ ٹس يرود دكار عم 
1 تلم پروارہول“۔ 
وقال سول الله لى الله عله ول دالاس بَلاه ياء م لمل امل 
لی رل علی حَسُب دہ قان کان فى دییہ صَلابَة ی فی الْبَلاءٍ .رن کبرح ٠٣‏ 
”حضو ر اکر مکی ایل علي دسلم نے فر ایا کول سب سے یاه انیا ءكرام پراز يس ]ل یں 
ریک لوگوں پ ادج با حول پآ د یکاک کر ين کے ابا سے از یات ہےاگروواپن 
ین ول او ا سکی معييبت می اضا فہکیا جات ہے 
وَعَنْ سغد. ال سل ای صلی الله عله سل ی الاس اَشُبلاهقَال ا يہ 
م آمل ال یلیلج على سب دون نُ گان فی یه سل شام ال 
کان فی دنه رفة هون له قمازال الک ختی یی غلی آرض مه نب 
(مشكواة ص 1١7‏ ) 
"تسد ے رایت ےک رسول ال یرو تم اک لولون ںون شش 
زیاددمقت بل (آزائیوں) مبلا ہوا ے؟ آپ نے فر ای انیم السرم ره لیگ اچ 


على خطبات _ _ لس مامتا اما نات 
درکن ۱ 

انان الخ رن کے مطا لل مصاب میں بتلا کیا جا تاے۔ چناج الكو خض اه دن 
مخت بوا ےتڑا یکی مصییبت کی کت مول ے او راگ رکوئی ۳7 اپ دین میں نرم ہوتا ے ای 
گیگ بو »زا ميرت زوو | ناب ل بیرق تاسے يبان ای گکروه 
زین برا عال ں چا كما سكاو لكناهبا لل ر ہتا۔ 

کر محرا ت ! ۱ 

جیا کہ جرد جانا ےک حص لبر نٹ ہوتا سے اور اتان يقزر ایمان موتا »ری اور 
تال كلاسول میس جوا عم ہتا سے ا انتما نکی ابتدال) درجات يبل وتا سے اور جوطا م ی 
اےاورانچائی در چات نل بعتا ہے اس سے اقا نکی ان درجاتكالياجاحا ای کی یں جوا 
کرابتال در چات یا سے انا درجات کے يا مکاا تیان لياكيا ہو الا ی در چات کے طل سے 
رال درج مك اتان لا گیا ہو ء اللہ تھا یکامعا مل ہی ان دول کے ات ا یبط رع کا کرش 
کادرجہ تاب بوتا ہے ال پر بڑے بڑے اانا تآ کے لاور کادر جم موتا ے ان م او یھو 
تاتا تآ کے ہیں دی معامل یراع ہم السلام کےا سے ا سے در جا تکا تھ جم نكا متا م جتنا بترت ای 
حاب سے ان بش1 ہیں حط رت ابرا تیم عليه السلام چگ ب دالانیاء سے ال ےپ بطرم 
را بڑے بنڑے اانا تآ کے تسل میس ووس وفص رکامیاب ہو ۓ ے۔ اکآ ز ءاتشو لكا بك 
کر ہپ سكسا نئي کرجا مو ليان يبل حطر ت ارام لاس مكا وان ءآ پکاعلاقہ اورآپ کے 
أبإذا جراد تل پھے ہا یں اع تفر ا تب 


ا برا ڈیم عل السلا مک سس رنب 
ا پکانا م ابرائيم علي السلام تھا آ بکرم سل كيك تا ال ج ر 
ردام بدا کے ز مان مس پیداہوے ےآ پک ی وش اق کے بای متام لگ دبال 
۶ كالول ای لآب پداہوے راس لا بآ گ میس ڈانے گے ےا 
لدنم بارغ تھا جكب برست اوربت برست ھا خضرت اماقم انيت شین 234 
ناه ان نوا آپ کے داداکا نام ٹاک رتھا سل نب ول (ille‏ بان حا در بن نا حور بن 


على خطبات. ۱ ۳-۸ حر ت ابرا نيعاي لام 500 
سارو رع بن را فالغ بن شاع بن افخ شسد بن سام کنل علیہ السلام ۔آپ کے بسكا عرق 
ارقا ءآ پک یل یتر مرت سار سس کے بان ےرت احا لماع 
آ پک دوس رک یوی رت پا 0 ۽ تی جس کے بان سےحفرت ایام ہو ری 
ساره کرت سل لع ”جر ون “ل وفات بلس اس کر دن کی عت یں ادر كنم 
:ئل بھی ےجس پم بل این اسآ زر اس ہیں »ال کے بعد نے 
ایک نان سے شاد ی کی لكان قعطو را تھا کان ےآ پ کے جد ہے ےن ران ,قطان 

مادا »د إن مشو رح اورخیای- 

ال وشت ونيا شل صرف تن لان ايك خضرت ابرا ایم علي رامسلا م دوس ا کا بی مرت 
لوط السام او تمسر جعت رت سا عطي السلا م ,نط رت سار ہکوہ س جوا گیا تھا د ہیں بر رت ابا 
عار السلا م ونا سے گے انت اس ایل اسیا ق عل ی السام نے تومي نکی اور یل سآ اورت ر 
حرس ايرا یم علیرالسلام نے سب سے پیل ای از کی رم ڈالی تن ہار یکی اون 
کٹا د يل :سب سے بی ےآ پک دزی سفي دمو ل سب سے ييل يناف بال صاف کے يلوا رین لی 

اور ی تاش یکی فيل شآ يك قبرك ياس کته یہاشعار دیاس 

إلهى جهُولا امه يَمُوْتُ من جَاءاجله 

ون دنا من ختف+ ‏ نجل 

ركف ینفی آخر من مات غنهاوله 

وَالْمَرْءُلَا يَصْحْبْهُ فی‌القبرلا عمله 

لتق نتن دپ لکامن رو 

جفرت ابرائيم علي السلام نے جب اپے لاس3 شک رکو ی و رر کف روش رک اور بت ب كادده 
رورو تھا ءآب پ ےکم حر بل رکا او ر كرتن رال قاط بو ,مناظر وه ع اور ماد 
ےسب سے یپک ہت امت 
ال سے باذ اه يسود درا ستارے ال قاملائ لک ا نکپ اس بت فو بات گا 
کر گے دآ پ ویش یا کے کی نکیا میا میں کے اورتہار یکی سفار کر یی هه پرائام لله 
تال کے تدص سے دی کیا سک چلار الک ذات وسات كو نی لف ونتصانا 


می‌خطات ۲۰۵ رتا را یم عا الام ے را انات 
سرف اک ادلی زات > با رو ںوڈنا وک ديا سے و یکلام لااجوی پاک ات 
تک داس نے و رگا سبجو سل ہیں ج نکی یہ ےت بھی 
كر ہو اتب باب داداک راہ دسكة ول دمل اعلا نکرتا ہو كد شل ان سے زاون 
مر كت رشان نيل اور لا نکن ہوں مرا ارب اور ہارارب بک ا مكلوقا کارب صرف دہ 
ول ےجس نے زین وآ ان نایا سج وی ا لكاواعدتضر فک نے والا ے خاک م یس تھہارے ان 
متيورو كذ يكذ ےکر کے رکرو یک - 
فر اکرایرا تم علي ر السلا م سيد ے ان کے بت نان تش ریف نے گے اوربتال کبک 
مانے سب بجو ركحا ہوا ےک مکھا سے کیو لال ہو؟ گس کیا نا راغ مو؟ یالکو لک كر تے ہو؟ نابم 
كرب رخوبز ورز ور سے بت لکول ڑ نا شرو رع كرد يا اورس يكور :ود يزكر کے رکعد اصرف ان کے بڈے 
لتو ااورکلپاٹڑکی ال کنر سح درک ء جب لوم نے د یک ا كران کے ووو سل يمول پا 
ہیں بوذ حضررت ابرائیم علي السلا مو بلایا اور شا رود کے سا نے بان رہ تام موكيا روو 
کہ اک یکا تم کیا سآ کے فر ا اکان سے لوكا نآ لسن مارک رن ڑا ہے ہمیرے خیال 
ل قال با نے ي یکا مکیاہہوگا کلہاڑکی کی اس کے پا ہے اورخو ديك تراک یٹم موا -الن 
لس کہا کیا پل جات ہی كيه یت با لكب لک کے ہیں۔اس برخطرت ابرا نے 
ا كم رتف ہولع واضول موک جو جا تی کلم جا جت روا مشک لکشاہنارکھا ے؟ 
مرودت کث 
رور ال کاحھران تھا 77 ادایت ې وقوف مفرور بارشاہ تھا 2 ال كم هرک ديا ړ 
إل بادشاہوں ن علوم کی ے دومسلران تے اوردوکافر ك_سلران بادشاہول ٹل سے ایک رت 
یمان علیرالسلام اوردوسراذ وال نین تھے ءاورکافروں شی سے يبلا پہلانمروداوردوس ا كت نع رتھا۔مرودنے 
رت ابرا تیم عليه السلا مو بتو سور ن ےکا زم دی اور الو ہے بيت کے دلا لاد - 
رت برا میم نے فرمایاکہمیرارب وہ ے جوزند رتچ اور سرود سف كبك یکا متو س کی 
تھا ول اوراس اق نے ایک ب مرن دي اند کی 
يكذ کی اردور کروی صرت ابر كم نے سوچ اک نوات سے اس ےآپ نے رايا كم 
ب مودي ن کشر سے مغر بک طرف کا كر نے اناس م اس سور مغ ررب سے مشر تی 


۱ على خطبات ۰" ۱ 
رن لکرل رك واس افر جواب وگو مركي ليان تآس بن گآ مد سکم ال نے 
كم جار کیا كرا لوكو! ابے خدا لك مدداگرکر جا جج ہو ابرائي ماو گ یس ڈا لک رجلادو۔ يناف 
اب نگ تاکن ےکی تارق شرو بك اک امعقان سے کلک اب ددسر ارو و یو 

501 کےاندازنرانےد گے ا کچ :یی جل نے مج يادليا 
دو اما ناس رکا رآ 3 
جب رود اورا ىك پا پا کول وججت تہ ری اوددلائل کے میدان + كلست 
کیا مگ سب نے انفا كيال ابرم زاگ میس جلاددكيوكل اس نے بھی جارس ول جلاڈالے 
ہیں قرآن‌کاارشارے: ره وانصرزالهتکم رن کنم فاعِلين» 
”یی اگ کرت جا --.. “ك2 
تا تکار طور یلک کے پرکانے لیر كفك متام شرو م وکیا برد كارا 
مکی تیل می بھی اورزاتقی وی ےک یککڑی بتع کرنے میں مشخول ہوگیا تی کہ ج بل ورت 
با روما نون را کار میرک بای دوبک یس ای ابرائيم (علیہ الملا م ) کے جلانے کے 

ر وکاک اك ای ںکھائی می ککڑ يال ككس اوعراس لع کک رکا وی کی الول ک 

باس کے قرب کک عل بلند ہو گے بین يرنرول اوروالؤرول نے اپنے اسع انراز ےآگ مان 

کک ےک شك يان بط ےر کک نے کے لے یک ماردکی دا سے چکگ کے مارنے 
کا ہہت ا اب اعاديث مبارکہیل ؤلادس> جب گل طور تارمو نذاب ژ۱ مک رطف 
رش سیگ ردوں ٹس ےا تیف ریا اراس كذ لت سے صرت رگ می 
ڈو ہا ے ءا نف کا نامرا ن تا ءا يام کے لق کو ہبی سے راڈ تال نے اک 
زاوی اورز خن نے ا سکنل ليا جو جک ز ین می دنت چلا جار ہا 
و حیروایمان ہولو ایا بو 

ادف هد لکھا ےکہ جب خرت ابی کا فرول ےآ گ می ڈاے 
ك2 بندهناشرور كي أ پک ذ ان پل هید کے لمات جارى ے لالہ الاانت سبحانک 
لك الحمد و لک الملک لا شریک لک او ج بآ بق ميكل کے لئ شلا 


على خطرات ۸۱ حع رت ابرا میا لام سنارت 
1 نے ریخب له وا یل" 
نآرق ادوس شراخ رات ہکان تھا سے یل یی ے 
مرف كي ا كرا ا تیک ای بنده سج جوز یکن یل نو هرارق ارکرتا ےا یک برد ضرورت ےاللد 
تو کے فر کارا معلومكرلواكر وہ پا ہے تو پھر وکراونضرت ريل امدق علی الام جب 
<فزت ابرا کے با ےلو اک نے اس ط رح سوا ل کیااک حَاجَة؟ کیا آ پل وو رورت ے؟ 
حر ارات عل السلا م فاص یکت قلاء آ پک طرف كول ما کس ۔ جر ل امدق نے 
ارچ دب سوا لکم یں آپ ففرا بای فی عَنْ سُؤالی “شن 
لسن السال ام ےُ من لمسانسی 
رمسمسی عسن شوالسی تسرجانسی 
ميرك هالت هزین سح زياده ع اه سے اورمراحپد ہنا خودتوموال ے۔ 
ال ریت براقي عل اللا م۲ كك میس ذا د گے جونی ڈا نے گے اتا هآ ونم دیا 
نر و نی بَرُدُاوَسَلَاماعَلى راهم ”ءا ارام ری اورسلائت والى بن جا“ 
تشگزاب ایک عیشت ہکرام جب آگ میس ڈا لے ك- 
ب ذفر ”الهم اک فى السُمَاء وَاجد ونافیالَاض وَاحِدابْلُک“ 


”'موزائو ] آسمان شش تا ہے اور ٹس ز يان شس ترک عبادت کے ے ایک نی »ول - 
یس م72 
حعطرت برا تبتك زا رال 

اکا مرو کی ک ڑکا ی بو لآ کت کت کي ادر گ نے صرف ان یو ںکوجلا انس سے 
ابا علي السلام بان رح کے تب ںکحضرت رل کے اندرحطرت ارام 
قالخا بيصا فکرر ہے تے كت ہیں ایک فرشت دب قاس اه 
مم رن ےکا تھا مق بش روا يات سرت تنل پگ 
رت ]لی الشا نگ بچ جس ایک ہرےبھرے اچ ل فل وف قط ریف فا 
کوک رپا چک کے که ارد اھر سکب سک تھا اور نہ بارس کول اندر 
پا انا 


بك ردایت یس ےک اس موتح رارق کے والد نے اس منظ لو دوكر گیب جل 


٦ی‏ خطبات ۲ ریا ليما أساام پا نات 
کب نالرت يك اهنم "اتن تراد بكياق مدب هی ردایت مل سور 
رت اب ائی کی والد دكت بھی اس وقت مو جو ری او رآ گ ‏ انر را سے درل يراس 
نے آوازر كا ےر ے ہے !یس جا ق ہو لک ہآپ کے يا ںآ جا ؤل ال ےآ پ اس رب سے 
د اکر ی كل يل آي تک مع کراند رآ ال :ضرت ابراقیم علیہ السلام نے دعاك اوآ پل والرم 
حافت تم ج بآ پک کک گنی آپ نے اسن مس و داور رواب لس بش 
روايات یل ےک حط رت ابرا تیم لآ گ ل جا یس دن کک ر ہے ایک روات مس كيال دن 
لد باکر ے ےکم ری نلك کےسب ے زیادوخوشکوارون وی ےی میں ےآ گس 
رکی کی تی متا ہو کم رک با دی سی عل رہوش ط ررکم كك زخرگیھی۔ 

غلا ص ی ہکغارن ےآ سے برل لیا سول ےآ برا للب ہوناجا الكرخورمغلوب 
بو ءثرآ نکر مکااعطان ے فوََرَادُوابے كَيُدَافْجَعَلَنَاهُم الاحسرین و وآزاذواب 
کيْدَافَِجَعلناُم الاسفلیّن 4 

الزش اراتم بل اوردرورے اجان دولول عل كامياب بوك »ار تال كاارشاد ے 
دقان له رنه اَسْلمْ قَالَأَسْلَمْتُ لِرَبٌ الْعَالَمِيْن) اورارشاد ےو ادلی ابراهیم رب 
بکلمات مهن سن رونو ںآ زنل يب لكامياب اورفرماتمروار>- 

تھبسراامتان۔شا مك طرف رت 

خضرت ابرا ڈیم علیہ السلام نے دین اسلا مکی وکو کل جارى یھی او رن حر کے لئ 
مفبدط ولال سے رقاب کون مو كرد ياء بال رآ كاوالدمقابل برآ یا ضرت ارام نے اهر 
ندا سےا للا جما ناس الل کک دہ اتا داطاع کرای نے حضرت را کوک بد 
رن ےکا شان فی اور کی و یکاک کک عراقی سکاو ٹس کے سکس رکر دو ںگگا رق رآ نرم 
نے سور تع ری ذل دولو ںکا ال کا نف لکیاے۔ 
برتمعليرالسلام: يبت اتید یط ان الشْبْطَانَ كان رمن عصیا 0ب إنى 
آخاق ان شک غلاب من اومن ۱ 
آ زم کال رب مت عن ای تراهم ین لم تن ازجمنک وهی یاه 
۸ قال تام لیک اھر لک نی رنه كان بی عیب زک 


على شلرات ۳۸۳ متام عل اللا م براضتهانات 
Rory,‏ 1 مه ده راج گی مور ور رو و 
وَمَاتَدُعْونَ من دون الله و اذغوازبی عسی الاا کون بذعاء رَبَى شتَبّا 6 


( سورت هرآ یت ۳۸۰۳۰۳۱۰۳۵ ) 
اس م لل کے إعدحطرت ایا ت نے ارت رورع کی اود ال قرا سے راس مھ :شا مكل طرف رواد 
مك ءآپ سكس ترآ پک شا رت لوط علیہ السلا ماو رک ز جرک مسار دش ريك سل 


چدالا نیا عرس 

نفرت ایرام علي السام جب مع رَد ایک د نآ پ حرمت مہا رہ کے ماک موسر ےک عون مھ روان 
کے الان اورکارنروں نے تاد یاک یہاں ؤي لض يسع جس کے سات ایک عورت سے جوقام 
انمانوں ےز یاد خو مورت ہے اس نے ححخرت ابرا ت بلا کہ اک كود تون ؟حغرت ایام 
نے فر ايك ميرك مجن سے پل رححضرت ابرائی نے ححضرت سارہ سے ف رماي کے دیکھول نے بادشاه کے 
ا کہا ےکہ ی میرک من اور وق تو ری اسلائى بان لباك تب اورمیہرے سوا ال وتک 
اورکوئی مسلمان مو جو یس > »اب اکر بادشاہ نے تم سے ب مانو م کوک می ا نکی جن مول کہ اس 
ون بادشا ہک عاد تہج یک اکر یکی بیو مولى تذووض رورا کی عصصت ور ىكرت ته او راگ کوک لكبتاكم 
رک بن ےو یگریت سارہ سک نکی وجہ سے ال نے ا تعد هگ ککردیا اوران 
اسن پاش لورت ارام پر ایک اور بات نآ ڑا بحرت ابرائيممناجات کے 
ناز جس ہاکھڑے مو سے اورالثدتقالى نے سب پات بشاد سينا كد ابرا کیمک کی مواورقام من ظر 
ول کے ساس ہوں اورضرت سارہ یات خود دک تل جب خضرت ساره بادشاہ کے ال واف 
27 اراو کرٹ الگ تا خضرت سار هگ دعا سے ا سكافر سک یر کرد 
ال نے درخواس کیک جحت موا كدو ت كول قا نیس بهاو لكا :خضرت ساره نے دما هگ 
شتا نے ا كنيلك رد ہار اس نے دوبار م اراد هكيااوربجر يكبل سے زیاد کک گیا تن دق ا 
اتو ہو چان کے بعد اه نے در بان س ےہاک نے انسا نکیل ایج نکوصرے پا لایاہے 
ارول دو۔پارشاہ ریت سارہ ے معائی با کات رح رض کیا اورنضرت پا لاقم 
دیا۔ 

بالات ایرام ای جر تكوجارى رسکی مد سرز مین شام یااردن جس ا7ے اوریامیت 
لقال مل انر کے اوراس تن بھ یآ پکامیاب ہو گے ترآ ن اعلا نكرت سج 


على خطرات ۳ ۸۳۷ جرت ا برا ني معاي السلام ا انار 
إذقَالَ لَه رَبَهُ 4 الم قال الم 57 امن ٩‏ اورارشاد ےھ واڈابتلی ابراهيم ر َيه 
بکلمَات EE‏ دی دول زاتؤوں د لک مياب اورف مان بردارد س>- 


وی اورشیرخوار ول میں جوز و 


اجان 

حضرت ساره حطرت پا هو رت ححضرت ایر کے جوا کرو یا خضرت ابرا ت نے اس 
سے شاد یکر لی اورال کے تن حضرت اعا ل علي السلا م یداو رتسا داسه جب دما 
کا نکی خاد کےگودی ںآ ایک وا صو ر ت ڑکا لبت ق ضا سے شتآ پو گواراو رگرا لگ را 
اورم طا کرد ا کہ بجر كوا ےش رخ ار سے کے مات کات دق بیابان نبل جهو ڑآ و حطر ت ابرا نے 
ال گل جلا ہکی طرف ے وق کے زر لهم سے اماز ت کا نتظاركيا نوی یس ال تال نے جلا دیا کہمارا 
نے وقادار کی سے اپا ا سکی دول رجز سے بڑ هك ست جنا ضرت ایرام نے پاہجرہ اورال کے 
شي رخوار جج حضرت اا کو ٹ اک رک کی طرف روا ہکردیا۔حخرت یرت کی اکر سارت 
کرت اغ ايك تما ڈی کے يال ]كارك گے یہ وى جک جہا ںآ کل بيت الثدآباد سب تفت 
ایرام نےتھوڑ ی کی وراو رھ بای خضرت پا جر «وعطا کیا اور ایک شام ردان ہو گے رت پا نے 
جاتے وقت آ ي كاد امن يرك بو جما کے اسن دق بابان يبل ایک عورت ذات اورا یکاش رخوار يج 
جوز رآ پ بك چارے ول ؟ خطرت ايرام غر اک اتا ی كوكم سح نل مانن مكارت 
ہے فر ایا كرك الک اعم وه تن یں فر ما ۓگا۔ 

ریت پا جره نے هرخص کیا رپ یہاں جرک ہکات ال 
ا رشي رتوار ےکی مو کا وت جوٹری بآ یا اودب اللدتھالی نے زمزم سے ا نکی ددفرماگی ایک الگ 
"یقت ےب رمال ابرا ڈیم علیہ السلام اس چو تے اتان س یکا ماب ہو گے _ مطل ے : 

ادال لَه ربه املع قال اسلمث رب اْعَالَمیْن)ہ 
«واذابتلی اِبَْاهیْم رب یکلمات فا مین 
رت ہونے کے بع رترت ارام میت اش رف ترچ ہو ے اورا رتیل سے ال طررح دعا 1 
را انی سكنت من ری باد يِذ ززع عند بییک ام 


نوا لضلوة جل من الاس تهر هم ازع من ارات لب 
ینکرون)4 7 (براهيم ع۳) 
رت راو یچ کر 
ا وال اتان 
قال انی ذَاجِبٌ إلى ربّی سَيَهدِيْنٍ ه رَبَ هب لی من الصَالِحِيْنَ 0 قبَشَرْناه بعلم 
خفلا لغ مََة السّعْىَ قال دی انی آری فی الْمَنام نی آذبخک فانظر مَادّاتری د 
. فال یب قعل ماتومر سُتجدنیٰ إنْسَآءَ الله من الصابرینه فَلَمَا اَسْلَمَاوَتَلَه لِلْجَبيْنَه 
وَنَادَيْنهُ آن ياإبْرَاهِيُم ٥‏ قَدُصَدَّقْتٌ الرء یا کذلک نجری الْمُحْسِنِيْنَ © إن دار 
لین © وَفَديْهبذِبْح عطیم ٥‏ وتر ااي في الأخرينه سام على إبْرَاهيُم ٥‏ 4 
(صانات۱۰۹۲۹۹) 
ترجھہ!''اورابرا کیم که شک سار بک طرف پل ول دہ هک( )بای دے 
ا مر ےرب کو ایک تيك ف رز نرد سے سوہ نے ا نکوای کی مالھمز ا فر ترك شارت دک سوجب 
دول کا یی عم کمچ اکلہ ابر امم کے مات حك پھر نے لگا ابا کیم ےرا اک برخوردار !مل خواب ٹل 
يامو كو( کم خداوندق )ذ نع كرد ,امول .سم بھی سو لوک ہار یکی اس ہے دہ اوس ےک 
ابا جا نآ جوم ہوا ےآپ (با ل ) کے انشاء ال آپ ب صبركر نے والول یش سے پا یں کے 
خر دوفوں نے ( دا کے مکو لی مک رلا اور اپ نے ہی ےکو(ذ کہ نے کے لئے روت ییاد اا 
نت ہم نے ا نآ رازو یک اے ارام ( شاباش )تم نے غواب ب دنبای سل 
د کے ہیں فيقست یس تیب مان اورم نے ایک با راس کیو د ےد ی ارتم نے لے 
آنے دالول شل بات ان کے لے رن د کا ا پم - 
زج اڑھد زنل کات 
هرت ار تال نے حطرت ہاج کے لن سے ایک فرزندارجمندعط اکا کان 
ایل رک کیا اسابل دہاخطوں سے م رکب ہک کے من سے اورا بل سكن ال کے ہیں شی اللہ 


کاس 7 ل دی 
تی نے رت ابرائی کی دعاسن لی اورا نکواکلوتا ٹا عطاكيا جود عا سے ایک کے ہے یں پیا ہوا 
ىك بعد میس نع کے لئ پیش كي کیا نہک اسحاق علیہ السلا مکوءکیونکحضرت اسحا كا بیدا شک بر 
کات لام علیپ لف ہوا ے جوا ی طرف اشار وک رتا كد وه بعد مل باس ےگا زار ری 
میس حضرت اکان کے بعدویعقوب نافلة اورومن ورآء اسحاق یعقوب -الفاظظآس بش 
ےا نح لور مارتحا پیداہوں کے رر ہی یں کے رانک الاد و جب 
وضاحت ا نکی بقاءاوران کے ست لک وڈ لی کروی و این رع کے لئ بطوراز ا کے پش یی 
جاک تج سک ترك اورحیا تک پیل سے دی جا گی ۔لاحال زارت سام عو ھے 
تن کے بار ے میس اش تی ےکا فارشا دفر ای اک رصا رہ برد با ہوگا۔ 

مقر كن لال سوا اح جل ےکی نی کے لی استعا لیس ہوااہاں ضرت اب رڈ کے 
لئے اک من سنت ے استعال ہوا ے باق اکم او لی بھی حطرت ابرا عم ارت امال کے لے 
ول »راطق لالج 

اورایطرع اذقال له رنه ال قال مث لِرب لالم بسب ضا س 
اورارشادات رز ,زع حضرت ایرام نإل اورز شرت اسا بل ںا یک فصل داظہ۔۔ 

حط رت اراتم علیہ اسلا مر واه وم التر وی یروا وم عرق کرد دمک 
خ ململ وب رآ ی کے ولاکہر ا ےکر ابرائی ال سكم پراپنے يال 
کو کردوہ ييل د نآ کوخواب خان تيك ر بات اس دن کا نام لیم لو ی دهدن ما 
معنت صق مال بر تو ا سكاجا رسکی نام لوم عر گیا اورتیسرے و نکانام تی يوم اھر قرالى كاانا 
يذكيا - 

الین رد بمب رس اوور کک 
ادج يباذون رانا زک تن کے دا تی يك اورک هچ 
کرت ارام اس میران می لآ مو جودہوۓ جما ہار :بیس پا اچ رخا چاه وس الال 
گور کےگہوارے میں ی بمو موز ارش ال اتیک موا رو لک لوش سے رت 
ہوۓ ےا ن نے ابا ہا کو درا اداف ماد ئے۔ ۱ 

حطرت ابرائیم نے فر مایا کے اے اس ا تھی تر اور رت ے11 اورچاوجگل ادا 


ھی نطبات FAL‏ ترت ابرا میم لیا سلام پرامتقا جات 
کر س بطرت اما نے ٹور کي در درل پاپ یکو ہشیر کے دا ن شیب مر وا تم می 
سے ہگ لکی طرف جل کے وبا ںہ کر تضرت مایم نے اپٹی ينوا ب کارا جرااپنے اشح یرواد 
ورف ما کی اے اسه ل !اب جا کار یکیاراۓے ؟ خضرت امال رون کال رکش 
کیاکراےاباجان جع مآ پکوہوا ےآپ ا لک نمل کے اس نی لكام شور وكيا ضر ورت سے ۔ 
خضرت اب رئیم نے یراس ال لے معلو مکرناچاہ یک اکر برضاورغبت تا روا انم ح ےکی 
فور ہیں پاک ودنہ با نھنا گا۔ ا مو تن ےھ یکوشن لک کہا سیق بای کی مارح 
ماز ياد يدم کے بات تہ پڑجاۓ »چا روه سب ے يد حضرت اجه 2 گیا اوركباكم 
جا تی كق وک ماس وبال نے ایا جاربا ءال نے لو مگب انل تن کہ اکا نکوذ زج 
فض سے نے جایاگمیاے رت بان وجا کیوں؟ امس سکب براي مكاخيال كان 
دب نے ا نکوؤ نع )کر هکم دیا ے عضرت بجر ف رماي کر ابش تھا یکم سے تب رت بہت 
مالس بعد انس نے ای طر ‏ ک فشک وحرت اسابل علیہ السلا مم س ےکی کپ ن بھی ای 
را دنکن جواب ےد ی را رت ابر نی ی الا مم کے يال کیا او کہا جس خواب 
1 اا پ بیکیاکررے ببو؟ حطرت ايرام نے ا كوايك وف كر یال ما گر وف ںگردیا »شیطان پر 
مودارہواہآپ نے پچ راا ی طررح مین مقامات يمان دفدشیطان ا گیا و تيك ای‌طرر نرت 
انراز سے ماراجاتا ے اور كورى مرا تباجا تا >- 
قاب عامتاب ایک نیزہ جح چا نتا رت رارق پچھر کچھ ری ركد رک کرت کم رر سے 
وهای وت ار تال کے ای مر ارچ تھے » جب مل تیاری موی نو ححضرت ابر اتی نے 
اپا نیزر ین پر نع کے لے لاد يا فرشتون می ی می ہو یھی بمو ال مرکا مق 
اش ای کرام ر کی تی لیا نی سك طاق یک ركاه الى بل ی ارهاظ 
مت ے مود ا سے حظرت اس ایل جوال ولتت نهاييت خواصورت بدك کے ما لك کے ادر باب 
کے فر ند اس واقہ می اپے والدکی لسل موف رار تے فا آپ اپنےکپٹرو ںکوخوب 
که )کرد يح آپ کے کپڑروں پرخون دہ سر یوجر یچ کہ بك 
یف نہد می ر سے چ رے مرد ڈ الل اک شفقت پر رکاش تیال کم کے درمیان عامل نہ ہو جب 
کک فق واللدہ کے پا سآ پ جا یں تا نومير اسلا مكبنا وريم ے بد نکا الرحا نودي تا 20101 


فى ات ۳۸۸ خضرت ابرا ڈیم نبي السلا م ایا نے 
کت حضرت ابرم ل ار یشب گر اش کا شاد كي اك ائفد کیا فر الن بروار 
دابع ریا ےاس کے بعد رت ابر گم سے اس خ انعجر کے گے پر زو زود تلن پر 
ار درک نےکام می کی تال تر اود گے کے مان لكاي کال 
نادي تھاءاس کے بح رح رت اس ا کل نے فر مایا کے بے مضہ کے بل لثادواورشا سف ٹیک برک طاقت 
رون طرف ے زئ کرو هرت ارام 2 ایا یکا اور رآوازے کم ان کرک 
چلادی »لاصركطتان بوت کے باغيالن نے بارع رسالت کے نازک يول بوا ری تز دصار اورآب 
اجر چلا دی اداه ری ل شورب پا وا قرت جم لباق رار الله اكبر 
والللہ اکبر »ال کے جاب لذن ہہونے وا ےرت اا كل نے ز مین پر ڑے يذ ستو نوكا 
جاب داءلااله الاالله و الله اكبر تل کے جواب يبل بطو شر ر تار انم ےکر ر0 
وله امد کی مقر اور جو کا تآ تک ایا مئشر ان مس جورم پٹ تے جات ہیں ,ضرت ارام 
ترك پرزورڈال رے درک کرک كان کل يق ے۔ 
ات اورقر بال کال ای طررح رک ت اکآ مان سن یآ وا لس اس ا ےاہرا تم 
نے انا اب کر کے تمهاد ااا ع تکام دنا جوم سے ما رہوااورف مات ردارکی ا یکانام ہے جوم 
نے دھائی می یتو رت رتیت ز کر تقصور تی ربإ 
ندیه آن اإِبْرَاهيُم ه فَدُصَدَّفْتَ اله غالک نجز ی الْمُحْسِبِيْنَ 0 
ذ هذ لهو ب لین مين ینم« 
اب ترق بل أجلت ےآ وم اک دب بل اورنفرت ال و الم لٹھ 
كه سار ران کي درل رای خو کی اور تک تام انان ں کے لكك 
رشن نا بجو الورامت کر ہہ کے ےر لی کک ریت نود ہار یک 
توش 1 ہیاک ونون غلطيرن 
فدارقت کثر ا عاشقان پاک طينت را 
یس ن کا عم رچدہ بھی یں 
اد كردم شر كا میں خن دیدہ بھی میں 


ابات 8 


-- 


تعقرت ابرا تم عل السلا م اتات 
یکل وںٹل ہیں کابیدہ بھی بالیدہ کی ہیں 


لژون مین بین جس اک برشيده بھی ہیں 
آرع ی ہو جو ارام کا ایان بيدا 
7 ے انراز گلتان يرا 
الیل تھالی “می ںآ فات وہای اورا انات سے چا ے او سرپ جا 
سس نکاما عطاغرماۓ بین يارب الحا من 
نومث: : ال ضوع سكموادالميرابيوالشها رضي ریالم یرگ سے لے گے و - 
570 اذابتلی ايُرَاهِيْمَ رَبَهُ به بكلِمَاتِ ت فَهن» 
عن سعد قال سیل الي صلی الله علیہ سل ای لاس مكبلا قال اليا 
ی امل الم نی الرّجُلُ على خشب دلیه قان كان فی ده لب بل 
(ص ۷ ۱۳ مشکوة) 
عَنْ انس قال قال سول الله صلی الله یه سل عم الجزء مع عظم 
لا وان الله جاح فتاه رس۱۳۱شکرن 


ھی بات ٦‏ رز 


ت۹ زوا جر" ان اب۳۹ مرج ۹۹ء ديد جا ھبس رو كراب 
موضوع 
مرن ارم 


قال الله تعالى را مکان ابیت آن لہ تشرک بی شینازطهریتی 
این انون زار السود »رن فی الناس بالْحخ ياو رجالا رَعَلى 
کل ضارا تن من كل َج عَمِيْقٍلِيَشْهَدُوًا منَافعَلهُمْ 4 رورت حع»رع» 
''اوروووقك قابل كل جلدم نے ابا رغاد كيك يلاد (ا كمد کر سے مات ےک جراد 
شيك م کر ناور می ر ے ا لگ کوطوا کر نے والول کے لے (اورقراز )یل کو وكير ہکر نے والول 
کے واسلے پاک کنا اود( برا يمحس بيب ىا كباكيا ل ) لوكس عل رع کے فض ہونے ) كااعلا نگردده 
اوک تمہارے يال (ی کو ےآ میں کے پیادوجھی اورد کی افطل ی جک دو داز راستوں ےآ 3 
و لكا کا سے (دينيه دو غو ہے )فا ل آموجورمول » 93 
وَعَنْ انس غمر قال سال جل سول الله صَلی الله عليه رَمَلَم قال مَالْحعْ! 
ال الست ال ام ارکفال یارسوّل له ای الح افضل اقا مج اج 
محر ت ام گر ے رداعت لايك ۳4 مورک یال وم سے سوا ل کے و 
کر مامت ولفيي كياج“ آپ نے فر ا کہ ال گنه ركنا اورخودميلا یلماعت 
.ان بعد ایک او س هکرس روا ل کیا کے بارسول اللہ کون رج فآ سه 
فرب اک کل ل زورز ور ےکلہ ہواو رگ ت ےون باکر امو 
ون ان غُمَر فال فال سول الله صَلی الله علیہ وَسَلم ی الالام على 
مس شَهَاكَةٍَنْ لاإلة إلا لمعب سوه وا اقام الصلوة وا رک 
روم رَمَضانَ رحج ج البیت. «رمدی) 
رت ان كت ردت سبك گرم الوم رلک شارت با رن 


على خطيات. ۳۹۱ فلو رج 
مم سج ءادل ای" داش واعد لاش رک سے اور سل ال عل کم اش کے بند ے اوررسول میں ددم 
از مكرنا سوم كو اداكرناء ارم «عضالن سك روز سعركحنا اورم بیت ال ہکا كرنا- 
انیا وَالْعمار هولاء وف لله إن سا الله اهم الله رن لارضی 
لله هر لاو یرف لخن فی بل الله لامرن لا ری لرخمن. 
چا کرام اوج تر نم یلک الش تا کا ہیں راک اتسوا کر 2 تال ان 
عسوا لکول فر ماتا سرت رگ تالا گی رضاہمندیی کے سوا نیس حا ست ہیں میگ الڈدتھاٹی کے 
مھ رش کک یش ال تھالی همان ہیں جوالل تھاٹی ےا نک فوتنودی چا چ يل - 
طف کے سے بش کر ج 
3 رل شاب اور شل ہیں 
اسوو حر کے ره بر وہ ج ترب 7 
یس یسل عل تاشرو تول گر 
> سعادت آل برع ک رکرد نول 
4 پم یت غا 2 پہ یت رسول 
كر محطرات! 
ہردل یی ماپ رال ےک ا کو بیت اللکی ذیارت نیب ہوہ رین یھنا کرو هلح نفد 
ما عن تاز جیکارے برا كول آذه سح كرو بلداش كرام یار کر ے٢‏ يچ تچ 
دو بر شقت برداش کر کے ده دا کک با روت ال لا میں سک دہ ا پل ود 
كيل شرت قدت بچھادے پیا سے ان يسونش رکتاکرو رم ے چپ فک را نی موزل 
ريد شاك سك برغ ا دجا رم شوش س كدو هكعب. حك ا کعب ومر گل حك 
امراف ارب شل ا طر كحوم جا كمرك سكل باس 
و ی ری اسجال باع گی 
5 رت ال ماع 
بردم اس شوق شن ےکددہ يرل وسوار دلوا وار وا لو کو ےکر ے بوه فضاول مل 
الڑتے ہوۓ پہاڑو کول کے ہو سے اورسحندر و جرس ہو سے ونژ اورکھوڑول پر طیا رواد 


مظاتےے ۳۹۳ 7 
جهن کی ارگ ین يرن كر ددرو دا داستو ]لين کر ے بد اس یم لحر اضر 
ساوت عاص لکرے بي لور اقش ایک بيذ وب عا لل اورآيك خود رف نون اورايف ال مار قل 
نضو رکا تصو رچ رت ے۔ 

رآ نک ریم ای ابا او رشق وحبت ےکر ےس رکا كرا ل طر كرتا ! 
و فى لاس بلح یاک رجالا على کل ضامرب تین من کل فج میق 
نین لوکوں ل بیت الد کے کی کے لے اعلا نک ووو ہلوگ کر نے کے لے تمر يال يابيادهاورد لم 
کی الول برسوارہوکردوردرازراستقوں سے ےآ میں سس 
نہیں ہے تيجال جع گی 
بان إن تردن مض ذال جات گی 
بعال اعلا ن ریت ابرم یل یلام هب ایض پرکھٹڑے ہوک راس طر کی: 
"ای االناس ان کم تخد بیاجو“ اےلوگواتہارے پروردگارنے ای عبادت کے ے 
ای مق ر کیا ےم لوگ الک رکا اراد کر کے رکآ و“ 
ببرعال اسلام کل اران 7 رن او تحير اورشبادت وعرانیت ےر دم 
تم زاو رن سوم زک ۃ رن چام روزہ ہے اورک ن چیم 0 ے۔ انتا م دا کا ايك فلز چھ 
یل ے ات چ ضرمت ے۔ 


ا رکا ن ھک فان وی منظر 

دنیاکے ان فو لكان تور اودروارج ےک ان بل اگ رکوئ ی صكى مطلوب ونقصو كوم ل 
كتاجاجتا لال -کصول کے ے وه اسباب وذ راع استما كرح اوراس -تصول حك انا 
کو بكوم رال ےکر نے بذ سے ہیں - را فا ںآ پ کح ںک ایک ماش نیقی بو ےاورایگ 
اشن بای + ماش 310100111111101 
ال ىار درج جواز نل عن یکوک اپ تاچ وو الن مرو ےکر ےی ا کوب تی کک 
آنا عماس کنیل کتک ایک د اچچ از ىكبدب سك تصول میں بين راغت 
کے ايك شق مارب صول مہ اس طر حکیمشقتیں براش کر او رف مقت کے 


على ذطيات rar‏ او 
ہے ہس سو تد ق gg‏ يي ہے ہے ہے سے 
شق کوب ال وعاس ل ہو جاۓ۔ 


لاف لاال الا نگ رسول ار 
ایک ا زک عا كل جب ا بوب ب ےول کے لے میرن ل بس انرجا ےا ومسب سے 
لكبو ب کی تصیدہ خوالی مل رطب امن رتا ہے وو م ونث کے زر لح ام وي کی الى 
تفگ ےک رت ے كت سل ول انان کاول بھی موم ہوجا تا سے و وت يفون اورم 
مرول ٹل اسك يل باندھ لیا متها کوب ب ایک هدک بجبور موكر مال ہوجا تا ہے چنا ني علي 
شرا کے لیے قاشع رک طم مس اورت لبن ڑے بڑےادبوں کے اد ی ش 
اک ایک قصود ےکر كحو عت ہیں٠‏ اھر ایس نآ کو ن کیت ریف چو ڑ ی ے؟ دو يبا لكك 
ع 
تن عسایساث السرجال عن العّسی 
رل فسوادی بسن اک بهلي 
سن لوكو لكا نر ادن رکش ادس زر عل اوم وکر کون وا من ميرادل رک بت سے ذدائگی 
يول ا 
انہوں كبو باد ترذ کے لئ ان لشيس لک يول سك دک بر ول ےکی 
دل دی مر كان ول سے جا ں تید دک وہیں برها ندسور نع اورستارو لكا نک دك کے دقاء 
ردان ال نهآ کو ن یکی چوک ے؟ ز ہی ر کے تا کرو نكل مکی مر خوا یی 
ويل انواس اوراودلا ےک تر بورح سازيال؟ رس شهب »بجاو رفرز د كام ون رکز 
وباک ل كوش كر نے كروت ن كحو عت ہیں سل یجنو نک بب لگلستا نکی طررح با کو بکوخویل 
سک تھا یک ودب ول کےر بوذت اس رقاب رید بکوخوش كنا چا تاج 
للہ یاب القاع فنا لای منکن اَم لى ین ار 
ایل ميدانك پر غو !غد اراذ را ا تا 1ک ری م می تیاده ول شل سے ہے۔ 
د أَطَارِدُ غن قلی مَوَاَازَالمَا ‏ تمل لی لیلیٰ ِكل مبلی 
شی اپ أل نلك بتكو با جار بت ہوں ما نکیا کرو كرا ست معا مکی ہی اکھڑی٤ے۔‏ 


عوخطرات ننک ۱ درم | 
د ال تسا يبدا وَبْرُعماللَهُکافل اي 
مولا ےکر ام رے ول سے کی کی عبت کی بھی ال گرا در رک ال دما جو آ ین کے 
ایشا تکرے۔ پنیا دک کے نون لطر ال تھالی کے ماس کو مک راہ ی ۱ 
قَصَاهَالِميْرىُ اتلانی با فَهلابحب غير لَیْلیٰ تلانیا 
كا شتا نے مھ حبت مل بتلاكياا | 
علاوه اورک كبت عل بت کول ٹگیا- 
كر لعل تیه ہو نے کون نے الڈدتھالی سے اط رب متا جات کاس 
دگزتک والعجیخ هم جیج "یارب لَهارجیب 
ااشرعل ےآ پکواس ونت کک وکیا جيل كر سدم ل تا کہا مز ورز ور سے کے پار ہے تے اوران 


کےدل ڈرے ہو ۓ 2 
قت رَنحن فِييَلَدِحَرَامٌ بولله حلصت لب 
كم جب تام مش حت جہاں رال اتخائ کے لے ہو جات ہے اس وقت یش نےکہا۔ 
تب الیک يَارَحْمَانُ انی أَسَأْتُ رذ تَضَاعَفَتِ الأنوْبُ 
ا ےر ےرب مل ترک طرفت كرح ہو لگوگ یس نے )بتكنا کے بو ول ۔ 
راما ین موی لبلی وَحُبَىْ زیازتها انی لاب لاب 
ردق ل ہت اوداك زیارت نواس سے میں فو ینک کرت کر ل کرت - 
نون کے علادہ شا عرسا تر ابوالطی ب تفت نروپ ون یتصول کے ے وال قا کا ج 
نشد کت جیران رہ جالی و ںاج ی 
فبایماقدم سَعیّت إلى الملی اذم الهلال لَحْمَمَیْک جذاء 
کس قدم سال بلندیی ب جا نابز آپ ال گت ںک چا ندال ے تیراجوتا :نایا جاے- 
َو َم القت فى سق زایه مِن السفم مار ین خط کانب 
اکر يلمك نب کے شاف یں رکھا جا ے7 كبو ب تلا تالغ ریا بو ان وال کے خط 
یں زرافر ہیں پڑےگا۔ 


على ذطيات ۳۹۵ 2 
مق هدجه شف نهارنا ...اجه لیس وی خيا 

تیرے بر تن کے سانے ہمارے دنک سور لآ رای چرس ال - 

باورا کے ملاو و شترا ےکی مدر سرائيا لكبوب کے صول ى کے 2 مول ہیں کے ہیں 
سلیران علي راللام زا میس ایک جر اقاال-4 2 لق مان کے هك ردا 2 
عرو ربعاكق سے حا کے میں اتی لانت کک چا ہوں سلبان عل راسلا کی کنر 
ع نک رون تناکا کن ىعم کیپ نے اس بو 
کی نے یکنا یکیو ںکی؟ چنا ن کرشم کو یق 0 
کے ی ہرعاش اس کوب حول کے لج اس طرع موق ہے موق توش کرت ہے میس نگ 
کوب تصول لئ بی ریف کی حر سا نے ا لمعا فکردیا۔ 

رط اش یوب تصول .تال بلكل ای رماع 
میں یسل نیو تق رت لاک رض سے لاب سے يهنيل تر کرل پیک 
شارت رک حیدکا رار ےک کل الفاط یآ دی باعلا نكر 
لله هه أن لل ره ریت با لله وبا لالام 
!بي یه ان ارو الله كرا كير 
وض ل وم تس اوروہسوریی ہیں جن مس اش زیاددشان 


ور ۔ 6 فو 


ےل لا اله إل الله محمد رَسُوُل | 


اللهاكبر کیراوالحمد ْ 
لحد عه بیو لجلل وجھک وعظیم ساطانک هو الله الذى لال ل هد" 
الغیب والشهادة هو ال حین الرحيم الملک القدوس السلام المؤمن المهيمن العزيز 
الجبار المتکبر سبحان زل عما بش رکون هو الله الخالق البارئى المصورله الاس * 
الحسنى یسبح له ما فى السموات والارض وهو العزیز الحکیم 


على خطبات ۹٩‏ رز 
لماز 
را یاز ی عغا لكا رسوروروان ےک جب نإل قصا اور یات سوب ول 
٢‏ لوگ دوس سے مر ملے دوبک )کر نے الكت ہیں اکا رع بوب ماک ہوجاے 
انيرو ماش کوب کے سا نے بجنا سے .از کرت ہے رموں ہیں رح سے کی ان کے ما نے وت 
بد هر ار تا > اورك كرون بر عاور ۰ ارچ کاکرنو اش کرت ےاور ٠‏ زشن رک در 
ےی ا نکی ذم نک ت رتا ے اور چا ے سوا ری کے يدل چا ے جنا شا عرسا ترکپتاے 9 
نا عن ال کزارنمیی گرام لِمَنْبَان هن لب ربا 
ایی سوا ول سکوب کے ا را مک سےا کے اور ہم نے سوا رم وکر ایز مین مر کرو 
اک خی 
زانی وَقَفْتُ الیرم وَالمُس قله بابک ختی کات امس تفرب 
سآ راو رگش تکل پور ادن رو بآ فا بک کآپ کے درواز هلک ارپا 
ای اترام کے ث ل اظ رکون سکول دوع وال كوا ی جاور شاد 
م رئ الْمَجْمْرْنُ فى لبَيْدَاءِ گلا فَجر عَلیّه (لاخسان دیا 
وان ےکک رام ای كراد یات طوراحسان ا كوايقى چا دد پ لاد 
قَلامُوْهُ على ماکان من وَقَالُوا لِم متحت الب ني 
لوكو نے بجنا نوا کت پملا م کر باکت نے كت کے تھے برا سال نکیو لكيا. 
فقال دَعُوا المَلامة إن عبن زَأله مره ھی حب لبلی 
وان ےکہال نع نبچھوڑ دوش نے ایک دان اس سكت كو نيل ليون عبن موعت مواد كسا تا. 
رل مطيره لكبو سب کےتحمول اورا نکوراض یکر نے کے لئ "مک جولصور ے و ونماز کوک ناژ 
ایک می عبادت هک اول سےلنک رآ فک اش تیال خیم ینز ىآ تقو ںکوکانوں تک 
انار ناف پر رکتا > .دست اس تھا ہو جا جا ہے .مور سذ ضح اور ھا ہز ی سے ساتھ جاج 
را بج کی سا جد ہل جا تا ہ دیاش کے قد موں نل م اکر رتست مض فوط لگا تا ہہ 
ا ہے رجات ےگ یاراداکواپنا تا يجوب پت اے ارات را ہوجاے عا ا“ 


شی خطبات ۹ وخ 
کے نیا دوس رام رھط ےکی میں و هو ب کو راک رتا سے 
فلز زکو؟ 
دنيا کے یا زی عشا كار يوستو راورروار ےک جبز ال تیف 0-0 
کی کامیا بل ہوجاتا رو وب کے تصمول کے لے مال لٹا نا ہے چا نیت کے اس را حت سکوئی 
آل الكل موتا سے سور سوت دی بھی با فیا اور لس دالا بن جا سا سے اط ر ےک 
آي انال کے بجا جانؤرول می بھی 211117 برآ رک سك ےک طرں چ 
ل وات ل ےک رمطلوب یاس کر ےک کوش كر ست ہیںءانسانو ںکااس را ے یں مال لول نی جز 
يبلس عش لمت مره میس ا تھا کور یکر نے کے لك اورتصو کوب وقصوو سل لك اس م رع میس 
ام 2و 3را كياكيا سک ہرصاحب حٹی تآدل ان ال حالصل حص وکا ل كراسي یب 
باتک .جاک وب توارط ہو ہا ے کول بظاہرز الى تق ریف اور ریم 
ےلوب الكو تيك عا »وس زک قد ےکر ای عا صاوق سكول لاس با حول ارو خر 
ح "تددر یکا ایک نما جذ ہہ یا +وجا تب آورمعا رو سک يسائر افرادق نونج اور جل کے 
اقا ال بڑھ جائی لاور نکاما کک وا ان سے را ہوجا جا سے اوردنیاوآخرت شش وها وا 
ماب کار ت ےلوازتاے ” الصدقة تطفئى غضب الرب؛ ل صرةغضبا 2۸ کر ے۔ 


فلؤرروزه 


بای كدق ذبان ست ریف سک بھی بان اتا ے چ رتم تام ری انقیا رک لتاپ 
ارالك لاد تا اور وكوب حاص لل وجا اکتا ہک ریک یکتم 
ار در ی کک ما ل کی لناب لجرك وكوب اس لال مواق دنيا کے اس باز ى عا كا ستو ر > 
رر ال چو تھ مرلے ب سکھان بنا جوث دیاس ماک حہوب ا سکوحاصل ہہوجاۓ ‏ چنا رده لوف 
5344 اش کرت ے دنياسك تام لذائ كور با دک ديا > اور ڈ حا كم کے ا کر میں 
4 ہشیت قرس ملوب ول اس جوم رمل کے لئ توا نے روز مق کیا 

جر اگ یما من یی اکتا لديل نے اٹہ تال كور رضن یکر نے کے لے لاال الا سول ال کانھرہ 
رلب كس جا یوب وعطلوب صل ہوہا سے برك یکی اور ال کی لبق 


على خطبات ۳۹۸ ۲ 
رای بان جب بظاہ ركبوب سحو لكام نہ ہو کال ال عاق تی سے 
اور ایک شاب کے قت دن را سپس پات یا کیو بشت ابا و 
طرف ال عد یث مل اشار مکی اگیاے۔ 
بنى الاسلام على خمس(۱) شهادة ان لاله الا اله وان محمد اع ۵ ورسول 
(۲) واقام الصلوة(۳) وايتاء الز کوق(۳) وصوم رمضان(۵) وحج البيت (رری) 
رخ 
کوب کے صول لے دنا کے اذى عخا كاي ستور کر جب ایک عاق دبل 
تحر یفک یکرتاے اس کے متس اور ما کی لاد يناس ها و سار 
کوب پاتھ می سی لآ نا ےوآ ركا رو هگ راو ےکا سو چا سے و ہکہتا كيل أ يفون مل 
بوب قصیرےبھی بڑ عع ميل بوك .الى خو ب نر کیا اورکھانے هت سكو روكياب 
ال زنر یکی کو ضرور کل اباب و كيس يماك ريبك ديج اور اتاج ,الى وہا كدرل 
و يرول کے جوتے اجا ركراب اورجذ بک اس طر 0 کیفیت ملاح ےک جنول کیت مل 
دراو کار کرت ست كبا يال سے فرت اوردحشت »ال > اوراس اميد گر 
کاخ کرت س ےک دہ ان مقاما کو کے کے جاک زمانے لكبوب ر کرجا تھ اد مال ينال 
اس بوب سك آ مارکھنڈرات اور سی کے پرذاورھلکیاں پا کے وهای تام عالات لاج ' 
نا سج اوردیارعجبیب یل ہراس متا م بے روت ے چہاں ز مانہ ای یرپ نال رركت كاك ا 
شعراء ریغ خواں اسن تا افو بی نیش یٹ كر ے ہیں وہ رگ مد 
اوردوسرو ری لے ہیں وہ برام پرکنڑے ہوک ایکا صرف لق بی ہی كر سق بک ہا 
وانرد هیک مات پہ ديع ہیں ١ك‏ چند ال بل خدمت ول - 
ایک دل جلا شاع را سين جذ پا کا یط رح انارک رتا ہے 
یا منرلی سلمی سَلام علیکما ١‏ هَل الَوْمَنُ اللی مَضيْنَ رواج 
۱ ا هیک ہہ کے دومکان !م دولوں پلا م ہو ءک اگ رامواز ,اواج لآ جا ؟ 00 
رل بجع سیم ازیکیف الْعَمی ثلاث الَف لیر البلا 


على خطبات ۳۹ فة 


رک باراد کے ٠ن‏ رک بك ال سا جواب ديل گم 
شا عرسا ابوالطیب ب تاج 
نیا ک من نع زان ناگ نک گنت الق بلشمس وارب 
ا فان عیب تھ بان !اکر چ يوج اد اض سف مارك گیل زياد ریک كوب 
کے ےک زل شرن اور خر بتھا۔ 
رکف عرفنا رَسْمَ مَنْ ل ید ع نا واا لعرفان السرم وا لبا 
درک نے ا لکد کےگھ کے نشانا ت كي ین ے لاله ی سے کے لے تہ ہا راول 
جوز ااور تقل _ 
سفن عبر طنها مرا سَوَابلاِن جُفُونِ نها سحب 
يل نے ا ںک رگیج ار ی نسو پلا ست وال نے بارا نبجوليا الي پوس نکواس نے باو لکھا۔ 
بون می دای میران يل اورولت فل ترآ کے »وه وكوب کے ورود لوا رك 
چا پاٹ اورطوا فیک کل ہیں »کے بلس 
مر عَلَى الدّيَارِ یار لَیْلیٰ 1 ذالجدار وَذَاجِدَارًا 
كبو یھی سك درو دلواي بح پگ رجا موقأس پاک د يوارو ںکوچومتاہوں 
وما حب انیا شغفن قَأْبى ولکن خب مَنْ سکن الدَيَارَا 
کر ٹک عبت نے مہرے د لكف ريف سکیا بدا نكرو کےکنو ىبت ذايياكيا- 
ایک اورشا تسس 
علی رم العَامِرِ ية رَففَة یی علی الشُوٴق المع كاب 
LAL‏ ان ب برلا زم تک وہ می رےشو کو كاد ے اورا سوک تب بنك رلك _ 
من عاقتی حب الدَيار لها یلاس فِيْمَايَعْشِفوْنَ مَدَاهِبُ 
مرکا عادت سک یش كا لوال سے بیج اس کےکیضوں کے بت ركنا ہوں اور یس لوكول کے اسن 
اپ ر 2 ہیں۔ 
کوب کے لئ پا نچو یی مرعلہمیں ش ربدت مطهره نے رن رع مقرركيا ےک ایک عاش 


صھیخظبات ۰ فوم 
شل جب سو چا كد کوب میتی کے تول درضا کے سے دا هگا نیم یپ 
ال بی لنادياء معان يدا بھی موز دی ور ریوب طابر تھی کی لآ یزاب مان ملاع 
بدن كيه ات ركفن غرادوجادر بان يدا »سرت نكا لذ ا اناب اوربیرول ل ات ہوۓ 
ا تھا لکرتا سے جس سے پیر ڈحھک دما نبل اورال کے او جود و هك ميل وکا کو كرد وان وار 
اوروال ان وو انان داز ے ان ديا ركار تا جہا لحو بك اگم ہے اورد ہاش لكايه لب جنا يور 
مات وا ارام "مل پاچ حجوب کےک کو بح ران سار بر 
الک طوا ف شوک سج كوبال جا هواک بترم را ساوسو الجخ 
اس کب اک هکس سابل يذعنا مر ہے یہا ید ونر ےب 
سے پاک دب کرک اتکی رب دب رای ہہوکرحاصل ہہوجاۓ کش ازل س 
گی لواف کے داقعات »هزور2 رسيت ل كور سکیا سکع سکب 
كورنرعا ٹل کاقصہ 

جنا ورز اقل ره بنروستان ٹیس لا ہو رکاگورن تیا لوسر شاو جهال بادشا كلك ماب 
استاد نے ددرالن درل برض ناکرا لکوررکوشا:جہاں اک یا یب الشاء سس مہ رتش پیل لاد 
سے لال تلم وٹ چلاگیا اور لال لل کے نی ال نے فل ہکا طوا ف شرو ]گردیاءووران چلراس نے ادر 
ات بلندى مرخ کت انان ات رآ یا دی زيب این ,مال نے یئ سابل 

رای نیک رش رلك بلنری رر ری ے۔ 

يب الا ءس رواب ی كيان 


ضا رسن كاد أي یرپ دعاقت کبس 
ااذ ددجيسح پاتا قر 


لوا نف مل ایروا سل کاقضہ ۱ 

۱ اھ دام اق کھ گیا یکاک ےرہ کے ےاج بی بت اطا 
کک ل ليك ۷ے عرو وو وی ویر ییاز 
نکال تنل ری قولے۔ 


عأ خطبات 2 39 
ایک دف اورالثدوا سل نے ب واب سناڈ ای سخ ]كراش نض سح ف رماي لا کے جوجواب 
نا کیا پاس تکن پاتے ہو ءا ال یل خو بین لول هچ کته 
سے عامل جارى ے ال نے جواب دی اک سترہ سال سے ءانبوں نے فريك جر يبا كيو لآ 
وس اللہ وا كبا كما در ہار الى" وان علا جا وں ؟ مس دہ جرا خالق واكك بده 
212111111111020 
كرك ہرعا لش ور ییا سے مشاه ب حار وب صول لوب كك كاد وات وار يار 
ےگ رور سے ءکند ھھے بلاج ار بھی سکون کے سات رنت ر جار چ سکس 
ےکی رن يما يجنا ےکی تچ رابجا ی مزاب رقت کے 
ما اکر چنا سے ایک شون سے واولہ سے رل شوپ اورز ور ہے سے 
غواف کب چ تك کر ج 
3 رل کشا زور تر ج 
موب کک کا طوا فكي مس مت رکا کرک کیا اکر دوگانہ پچ يط 
نش رای رجآ یاو رکو بک لنش تا کب سكمس بتکم یانب لاب يباك 
ےدوس ری اک غوب دوڑ ناشرد کیا اداد کے ہد بوب هرا دعامیں اس 
رداق شل اتراو ا ںخوب تی دوڑازبان نک ار سے بدن برغيار ہے اوھ ھی یسیار چاو سوب 
کانظارب پو راگ ل داواندوار عدي 0 
اه لئ السیسار ویس ار نسلسی 
ات[ اجار وَوج تدارا 
07 7 بت لتيل ي 
عانق جب ان تما مرل کو هكرتا > اور ايوب حاص لكل ہوتا نويل ديد 
تکار کرت ےک رخ سس نے کش ربت کے اس میران میس ڈالا ج ان ت تا رمعلوم 
كلا كوب کےتصول ےک طریق ہس »بد ينور میں عارك د اس روف سول ست 
لام پڑھتاے برض اون یں نمال پڑ تا ؛اچے رل امن چم شا 


على خطبات ۱ rer‏ وج 
جا٢٦؛ے‏ یاد ےتا رکےآنے جانے اشن ٹن يك ذل بدا بارس 


راک زار کر سے #رراه وذ كردي ںکٹوانے وس پروافو لک تتورومشابرد يكت کے لے 
دما تك یرتک اد یات ےک یوب کک رک طر فک کرو 
آ بے کوب رس آل يال پپہاڑو لکد کنا ےک نات جا تا ہ ےل رصت تر وس هل 
كنا اوركبو بق کے سا دست یاز وراز کے مو ہیں هراک دک رد رکب 
کومنا تا ہے شا متك راز ونیاز يبل وق تگز ارجا ے ایک اوروادق مز دا کار كرتا ےک موک ےک 
کوب وبال دای م وکر ھال ہوجاۓ ٤ا2‏ ے بو ز ورزورس ےکچاے: 
لبيك اللّهم لبیک لبيك لاشريك لک لبيك ان الحمد والتعمة لک والملک 
لاشریک لک رکا ہے 
الس کر مَسافض المع 
ها وف وت زان تفم 
سیسات رن 
بنسجسوی وب الک واکب تسزقر 
مرول س ی بات براه بال ار لور اورميلا یل كر سرش ایک شور ب 
ول کے سا پر کوب جلوہ 69 سی دش سے یوائ یکوزیادہکرنے کے ے بك 
کر یاں اٹھاجاے اور یھر ایک اوروادى مکی طرف پل باس جو میں سے وکل كبوب عل اب 
وکا دی آ دی یں ان يل داتس نا اور بأل سا عن ہی را سے يل ایک بذلا 
راوث ےآ متا هن كرت ےکن یں تارتل ال رکاوٹ سكس كربو نك بارش كردكاء 34 
إل ماع پچ ہیں :ان لی ہو گے ہی کارا مر ها 
ہے؛ایک چا دراد ایک چ ہے كا لو لكودوركرر | ےسب بدك ينورتكالا 
ITE‏ دک ےب یکس ے کال 
ا یل را ہوا؟ اس برش جب وہ ھٹا ےکر بت کوب بظاہ رما 
یش ہواتذاب خاش کی بلك اورسو ےگ 1 یگ دنک از عغان جب سن م۲ 
بے إل ردان کپ ری یرب ار خویش کرتے ہیں اب ا جا کاب 


ی خطبات rer‏ ندیرخ 
کاارارہ اشن تش كرا اوروه رکا ولو لكورو كر نے کے لے ج بر ول فار موما ات 
تقر با نگاءکار كرجا سے کو و ایی جا نكر ,الى دے دے دہ جا جا ہے ادرو چا ےکا بت کوب 
کےتصول میں جو پیج م وکت تھا س نکیا اس اب ال زنر یکی ضرورتنجیل اب ا کو تت مکردو نگ 
قرا گا :جب کچ ہا سجن جوب ت یکی طرف ےرم تک ایک علد ان پر پل ہے دہ اشا ہنی 
ےک ہان کی ییافو رز کرلووتقو کیا ہا ۓگاء یہ جاک چاو ركوال نیت سے ذ رتا ےک رال 
ںا ےآ پوت کرد ا ول - جب ٹوب جو سےگمی پٹ ھکر جافو ر قربا یکرتا ہے اود جا نکی بازک 
ا ےتا ب کو تق راضی رل جانا کوب کےراشی ہہونے اور و لوب کے پ رکو 44> 
اش تق کورسال عبی بکا متنا م عاصل موجاجا ہے اب مو م ںآ ہا ہے و اپ ےہ آپ اظ رڈ اب 
باب نظ رآ ست نل ركبا ے ارے بكي ہواری اشن اتے اس ےکیوں میں؟ارے می بال ای 
راد هكيول ہے اوہوا كير ات می كد کال یہ وكوك رپ رس نا کی طرف جا اسب 
تس لک رتا سے صابن استعا لكر کے سنا اک لکرتا ہے نے یر ان تر ال یا سے اور 
اتا ل کر كنا را ور بط اک ہوجااہے عد یث می كباس كعاب اکر ياك ہوجاتا ہے 
سر کی دن مال کے پیٹ سے پیداہوک ریا ھا ا یط رح مشق درون و رال موجال ہے 
ادا يعد یث مل ہا ! 0 

بنى الاسلام على خمس شهادة ان لاله الا الله وان محمد اعبده ورسوله 
راقام الصلوة وايتاء ال زكوة وصوم رمضان وحج البيت من استطاع اليه سبيلا 
صدق الله جل جلاله وصدق رسوله النبى الكريم 
لتاقن لانو يج مک ےکی مال عطافر سة- این ارب الین 


ی لات ا فضت 
مره زوانح ۱۳۱ یو۳۹بارت 131 ۱ د ينجي كد کرس روة كرا 
موضوع ۱ 
7 : 206 
شارت ارم 
قال اله تعال لالب وضع لئاسلل که مرک دی لاه 
فيه ایاث بيات مام راهم من وَخَلَهُ کان امناولله عَلَى لاس جج اليب من اسْتطَاعٌ 
ترفن الله عب عَن امن ال عمران )۹2:۹٦‏ 
بے نك سب سے يبلح مجولدكول کے وال (عبادت کے لے ) مقر ہوا ہی سے جوک س سے جو 
رت دالا اورقنام عا م کے لوكو کے لے براييت سال عل اج رنانيال ہیں تيب متا م ابرا م اورجھ 
اس کےانددآیا ا ںکوامن طااورلوگوں براش تھا یکا سا رک یکر( تن ) جیٹس ا سکی طرف زا 
ےک ند رت ءکتا ہوادرجونہ مانے فو را وال ركنا ان وا لو كك » 
ون لین عباس قال قال رَسُل الله صلی الله یه ماهس إن اله 
کب غیکم الج فام فرع بن حابس قال آفی کل عم تازشول اقلا 
نم رجیث وََووَجبَتُ لم تفملابها رم تسيو اواج مره مَنْ راطو . 
(مشكوة ص ۲۲۳۱ 
قرت این ع با سے روایت ےک تضور اکر می او علیہ يكلم نے ایک دق لا خطب. کے دوران) 
راي ا لوأو! م ب ته الم نے رع ف کیا سے بل اتر س بن حا سکوڑے ہو گے او کہا اے ال کے 
ہل ال فرش ہے؟ تور اكرم نے رای اگ کاک ہاں پال زض سے رتم وش 
جا اد جب فرش ہو جانا اقم دا پک لک ے اور گر( عم میس ) ایک مز ےہ 
زياد وكيا وول سهد 
وَعَْ ابی أَمَامَة” قَالَ قال سول له صلی الله هرس من ليم ِن 
لح حَاجَةٌ ظاهرة سلطان جَار رش حابس فمات وم یج یم ان شاء 


على ذطيات ۳۵ فضت 
راان شَآءَ نضرانی. («مشكرة ص ۲۴۲) 
رت الاب سے رایت ہک ہک یم لا نے فیا پٹ کو کرنے سكل 
مول ضرودت یام بادشاه يلول مع رکرو سے والامنل درو کے اوردہ یر کے مہا ےا ا ےار 
ہے چاچ مہو دک ہوک رم رجا چا ارال وکرم ے۔ 
وَعَیْ ان عباس قال قال سول الله صَلی الله لی وم من راد الْعمٌ 
لعج (مشکوة ص ۲۲۳) 
حضرت ابن عا ر سے و ںک رسو ل الفصل الل علیہ ےل نے فر اک جت رج اراد ہک ےو 
اداکر نے میں جلر کر ے- 
ناب حمر قال جَاءَ جل إلى البي صَلّى الله یه وَسَلمفَقَالَارَسُولَ الله 
اجب ال ؟ قال الاد وَالرَاجِلَةٌُ رشکرة ۲۲ 
ضرت ائ نکر سے رواييت سك ای كد حضو اکر می الث علیہ همست و هک يارسول ار 
واج بک وال جز ب یکو نکی ہیں؟ آپ نے جاب نر ایا سوا رک ادرراتے کاخ جر 
كر محرا ت !! 
اسلام کے پا کان شل سح ایک رن ہے اورسك پا ركان اسلا مکی نیا وراب 
ان پراسلاماورایما نکی اد تکھڑکی ہے اس سے يكبل مہاب تہ م وضو طف رن شش د٭عد ی ٹآپ نے 
كنل سك اسلا مک بنياد يا جزدل تام ہے او لت حير دو راز مسوم رز 1ء چھارم روز ہ اورم - 
اب ی ی یلع شک ناما تاہوں۔ 
تارف 
لت ل قد واراده کے کن میس ے اورا ك شر اصطلا ریف ہے ےک ا صوص 
سل انوا لصوم کے مات مق ما یتوص کی ز یار تکا امن ہے ز ما صوصہ ےم رارځوال ذوالقعره 
اذ اہ کے مه ہیں جب تک شرا لک ید شورع ل موتااس سے يبد الى مش ارام باندھنا 
ا کی نی تكرت اودر پڑھنا درس ت نیس بک روہ ہے جب شوا کا ہی شرو ہوجاے لو رل 
دک اترام لان اورضی کے هنا سب بو درست ےوک ہے یقات ذال ےک 


کیت ___ 2 ب7 
SS‏ را بیو کے 
کک نے ا یک طرف اشار کیا »و الحج اشهر معلومات 4 ( ی س ول )انیل 
توص مراد ارام لگا نا خر سکس استتا لک نا سرک رکھنا پا و لوجت ہے شک نارای 
پت ڈھک ت جاۓ رال کی کرش اش ورزر تیا یو 
تست ری عالت اترام ل گر نا کا رن نا ورطواف و یکر ٹا صو افعال نول )مقا ات مقر 
سے مراد یت الت او رس ترام ہے ءا كا طوا کنر صفاومرده کے درمیان سات پیک ریس لک پر 
ارا مكل عالت ٹیل ۸ ذ داش کا س رک ناد ہل را تكذ ارنا مروبال سے کے وت کر نات ینیل 
رقت کے کس ميد ان ل با نرہ لازنا خر ب کک وہا هراب رکه رک نمازت ری ے 
ونت سن يهنا يم رمزداف کے لے رواٹ ہوٹا “وبال خرب وعشا ءک نمازایک اتر سے کے اعمال 
بالا ا او گرم یکر جھرۃ او یکوک یاں مقر کرت لجر من ان یھر کے یاصاف د عله 
دس ےکپٹرے فا رطواف زا رت کے ے ناروآ نا وبال ردير فعا لکنا اورم تن دان 
ریا مارنا صوص افعال ہیں جرتصول زءان بل میں اور صو ماما تک زيار تكى ےج 
کا تارف اورسنبوم اورابتمالى ت کہ وق شی ے_ 
نكب فش ہوا؟ 

اس شس للف اقرال مض کہا اش یش فرش ہوا کہ اک راف 
ور قل یس كر ھ کیرش ہوااوداسی سال عل صر ان اكب کتضو اک رمملی ای 
نے اعرا با اکر کے ے رواش ف رايا اورآ يفره سا تضور اكرم خود يا نس برا رنفول رسیم ساك 
تخریف لے هب الودارع کے نام سور جوفرضیت رج کے بح تضو اکر کا يهلا اورآ ركان 
ےفرضیت نآ رآ شيم کے دارع احکابات سے ثابت ہے امد یٹ مقر سبل ا لک رطیت ہت 
مارک میں یں الى جرا ام بھی منعقر ہے ورتم فقهاء کے با بھی فرش ہے لب 
كاتا كرس والا كاف ہے ادرا تا عت کے باو جود نکر نے والا اق ء ری ع رھ ریس ایک بر ؟ 
ال کے علاد ل ہے متام مال سے کاک دو ری ہے ای طس ال رمال سے غ قا 
کرکے ہان اتر درک ہے جب رع فض »اس قراس هش كر نی جا ےج نرک نے کا 
اولان سكا دوسا لكك بي و ا ہو جائے۔ 


می بات 4" تن 
8 34 فش ے؟ 

رآ دعديث میں سج کے اتا ایک ف لوقي سار امن استطاع اليه 
ےل“ تن ایض فش سے جو كل اسیا عت رکا ہوا نپا ةكرام نے اتتا ع کی 
۳7 الك الک ES‏ كس ےک امام شا نا درادن کے پا لک نش کے يال ما لکا ہنا 
استطاعت سے گر رد اورصاحب فراش ےلین اس کے بال مال ودوات ےلو ال 
فش واا ہے اور چوک وہ خودجانے كا طاف تل را ےلپ وہ ای طرف كك اوركون ب بن كر 
ان كفب يكل تا مکرے وٹ باكران کے لئے کر ل جا الکو بلج ہیں۔ 

امام ملف ربا ست ہی ںکہاستطاعت سم رارکت بدن ے جب ای کش تند رست تاس 
بعال بل رع فرش ے ده نع پر جا گا راست د لکما ےک اکا كا او رہ رآ کے جات گا كا كا 
اورا ما ےک اونگ وب ګت مرق وول كا آرزمترع؟ 

ادام الوطيفرق را 2-۱ و لکراستطاعت ے مرا زاد وراحله “ث1 ذ جا ےکاخ چ 
وراس کا اک راےہویاا ق‌سواری»واورطا ہر ےکا 9 27 ہیں كنت منر بد ن شرو رک ے اورا کطرں رات 
کال نچھی رو ری ہے الت اہ کک اورک ر دوفو اع وگو کے لے مار یکا میس رآ ناش رط الکو وہ 
سارک سكا رج کو جا گے ہیں- 

کے فرش ٢و‏ ےک رس 
منررج ذل شراط ياس جانے کے بعد فرش مو جا تچ 

(1) مسلمان »ون كاف رل ہے )٣(‏ آزادووناغلاملونڈکی پر فرش کل (۳) باخ ہونا 
دپ رس (0 )اقل مون نون پل اور ید موش و ہے مول پر وش نال (۱)۵ستطاعت 
اتہر الک کل ہوا جوضروررت اصلي اور قرع _ كفو بواورال ‏ ز اوراه اورسوا رک کے لے 
کال #دپاسع اورتن لوكو لک تفت ال کے ذم واجب سے ان کے لے بھی ال یں سے ال تر 
# جاۓ جوا کےلو ےکک ان لوگو كد كفا يتك ہشن لوگوں کے يال ز ین موجود اکر وہ ال 
+ نکوفر وض تک ےق بہت بيس اتآ سکتا سے جس ے وکر حلت ہیں تو اس صورت می بھی لوگ 
صاحب استطاعت ہیں یف فقهاءى راۓے ہے۔ 


موا بح رن 


يها لكك جوا نلکدا يل جا راق فل یی موی 
کی فضت قن ئس موك اورسك جرا میا کی جا هنک كدان سک ہاۓ زر 
ع فض رسكا ابت جب کک بی موا مو جودہوں سك رع پہ جانا ضرو رک شتوك رل ونت موا 
ہو ی کے پر جا نافرٹل ہو جا كا -(1) بد کا اہی کوارش سے فوط بو ش نکی وج ےمد 
کر کے تب انرھا نووا ءا پا یا یا وڑھاجوسواری پر یٹ نہ کے(۴ )یک قیقر 
باه ےم کے خوف ل ہو اج ب یک ال 3 ناف یں (٣راتے‏ کیاکی د ہوا 
کول سك اک ڈ ال کا اگ رخطرہ ہو ول دریاسان ال ون عذر سے ( )عورت کے لیے رال 
میس شوہ ریگ کا مو جوو نہ ہونا (۵)عورت کے لج عدت شل ہوناخلاصہ ےکھت د رجہ پالارا دا 
ہیں اور معا ری جل وار جب دورو فض ہو جات ۓگا_ 

سكف الل 

تعد يات جزل فش ہیں۔ 

(۱) تام نشکا در کے لے شر لی ہے۔(٣)‏ رو #9 عرؤات مش عرفات لا 
مر خواہ ایک بی منٹ کے اقزر ہوخواہ رات عل بمو( ) طواف زیار ت کا اکر ج فش ےک 
يا روط ارچ -(۳)متررچرپالف نك تر تی ب کا لی شی اترا مكووقوف اوررقو فکوطواف زیارت 
پر مكرنا-(ه )مرف كواى مکان دعقام بی بھالا ناچہاں وہ فض سمش وتوف ال عرفات 
لواف یت الد شی ہے امام میقات کے يال >- 

پچ کے واجمات 

مکی بے داجبات ہیں (! )دقرف مزدلن(+ )سی( )ری (م )1 واقی سے لے طواف 
تروم( ۵ )علق مات کر (۱ )مرول ننس کے تر کک نے دم ہو پالفا و ونر فا 
کوتر تیب کے ات ادا رنا۔ 


ہے وس 


مو جسئسشت- ۔ ریغ 


جب ایک ما یکم ےک لکد کے لے رواش توا یلوا کے سے ضروری موتا كوه 
مات سے ے به ييل اترام باه لے ھا رن ےک گھرسے اترام بان مه يرس 
ابندرکاہ سے اتا مكل راکرس ار ككل کے وقت ما لے ہے فص لک ناضروری 
هتم سك دی طوريه اتا رکرناچاہتا یوگ رع کی تمن ہیں ہیں او لمع »ددم 
نراد سو قر ان پیل ملا و 
20 


کے ایام یس ار میقات سے ایک حاب گر ہکا ام با ندتاے اور یھر جاک رمرہ اواکرتا سے 
اور اترا موس اور بعد میس رع کے لے حم شریف سے نيا ارام با دحتا كوي ليك فر میں 
داد ںکافا کد اناما ہے فو ال سکم كر کو من كت ہیں اوراس عاب قوم کھاجا تا ہے اس بع کے 
ال ماب یکوبطو مدع مع یی قر ,الى كنا سے ۔ 

عوام اناس عا طور يرا ىا کار کہ کے ہیں اس شس ی ره ہوتا ہے ا كل انيت الس ط رح 
ج "للم إنَى ار الْمْرَة رها یی نها یی “ مولا ۓکریم !ام کرک راد 
کرتاہوں بج سول را اور سان فریا۔ 

پر شریف میں كانيت الطررع > "للم ای رید الح یر ای 
تفای “ٹیک للم یک یک لاشریک لک یک یت اور يرا رامعا مطور 
مات زی انا وتا ہے | آ نٹ زی الک وناے مہ مرب دما رگ پا نما یی ا نبل 
“دلي ےنات جانا ہوتاے 

اراد 


عا سف الرميقات یا ایر لوٹ يابندركاهح أَيام خخ رف کی خی تکی اوراترام کر . 
یی پا ےکا نا متك دادعا مفرد ال عا صاح با سا گرم 
ریف طواف وک یکر ناچا ہے او ارام تاک عالت مل و بإ تا ارا مکا حون 


بات 3 نے 
بای اترام سك سا جح می جاے اورا کے زوا كادن اوررات و ا لالذاركر پا 26 7 
دوسرے ون زک ارفا تکی طرف روانہ ہو چاۓے اورزوال شس کے بعرو | العا سرافو رز 
سا ال شیک بوكر اردع کے لئ بحرا رکھٹراہوجاۓ تن ہوسکما ہے فیا مس تیلب 
بک دک ا ادما شخول خرو بآ تاب کنات چیم چا ربکا 
یرد ہکی طرف رواد ہوجاۓ »یبال پیدل جانان ياد ه آسان ہے جاک رتم سے تک پول 
جانا آسان ے۔ 


خرب وشا ناز یں مردلفہ يبل ا يق اپ جبوں پر جماعت کے ساتھ پڑ ھے اور گرا 
یس شغول ہوجاۓ مع سومرےنماز کے بجر اورطلورع اب سے يكل عفن وتوف وقيا مکرےال 
کے بع یک یکی طرف روان ہو جاۓے یرال ذواجكادك ہے اوراال ے يعل ۹ وا عر ہکا دن تھا اوردی 
نج تھا :رف ہکا قیام اوداال سے يكبل اترام اور چم رطواف زيارت ےشن چ بین بل ہیں ن بے 
فلس بی تنل کرد زوا کوسب سے يبل كام را سحت میں موجوداس بر هیال بارا 
مل يلعا ہے شیطان مذ رگ مب اشیطان ی ج٤‏ الى ہے اس سے يبل فا رر ہوک رع اورقارن کے 
لئ تقر بای کل ضرورى بقر بای کی می عل »ول :قربا کے بحر کے بال من ا یارس 
اال کے اد لك سک كير بای نكرطواف زیار تکوچاناہوتاے ‏ طواف فض ہے اور کی اد 
ہے۔اس سح فارع ہوک بی با رشن جاے اور ره دودن ی تین و نکر یا بر بل 
کور اي پر كاك اجمال نوینش فیس ماگ تال 
داجب کیل »ير ان کل کے سا ماس جوا کے رفول تر مقن ہیں۔ 
نتر ان 
مان كرسي كك رميقات يا ير پورٹ اد رك يرال طرح ی تک یک ادگ روا 
ات الفا شل لاد یااو رکہا: 
"هم ای لعج راز ما لی زتقلهمایتی “ یک الم یک دا 
مر كس ےکور ان سل کوک تر انعلا سف > ٹس سے اوراس ے۳ بھی دونوں چو ںکو ماد 
ی ان ہے ادر ما گی قارن هي صاحب جب کی با ييلع کے لے طواف ول 


على خطبات اام ۱ رضت 
و يروو بار لواف قد وم کے لے طواف و كر ے او اور چا 2 اور با افعال ين 
مز یط رادار او پھر بای سب ال احا ے بال‌قر ان رن او مر 
انراد ےلین عوام کے لے تر ان سك مسال ينا بجنا بت مش سال لے دو یا کر ی افراد 
کر تع ارت ترا ضرورى ینار قران یکی ر تا ریس انش یں 
روز لك یکن روز ےلو مم لف مل اورسا ت روز ےج مرواب لآ جاے .ړدک روز ےد 
اوردمثر ا نک طرف ےکن لین ىہ بادرے كران روزوں کے لے رو رک ےکآ دی ارام لك 
کرروزے رک کوب ا اورسات ذ وای کے روز سد ارام کے تھ اور یی اترام ريك 


اترام موا 


طواف ووا 
جب مات رس تمام افعال سے ارجا و روف چا اس بي وجب هكم 
رخص ت کا ای کطواف پیت ال کے اروگ وکر الوا فکووا ف ودار اورطواف صرركت ہیں .یگ 
»کل اس کے عدو كرا او طلا ج>- ۱ 
الج 
(۱) وعن ابی هريرة” قال سل رسو ل الله صلی الله عليه وسلم اى العمل 
الضل؟ قال ايمان با لله ورسوله قيل ثم ماذا؟ قال الجهاد فى سبيل الله قیل ثم ماذا ؟قال 
جج مبرور . 
رت ابو ہریڈ كي إلا وک سول اسل ای وم باب لكان سال سب جم ہے 
؟ پب نے فرمایا کہ اللہ اوراس کے سول پرایمان لا نا چا بپ رکون سال سب سے بت ے؟ 
را اڈ تالی کے را سے یں ھکر اگ رن سكل ؟ راوج( مر 
)۲( وعنه قال قال رسول الله صلی الله عليه وسلم من حج للم يرفث ولم 


يفسق رجع كيوم ولدته امه . (مشكوة ص )١ "١‏ 7 
حضو ر كمسل اللي مرک اراد نض رضا سے اه کے لے كس اوركول 


على خطبات ir‏ مت ۱ 
ا ر سے ایا اک وصاف گر ام ۲۶ ا 
ا کی يال نے ا كوجنا تا - 

رمم وعنه قال قال رسول الله صلی الله عليه وسلم العمرة الى العمرة كفارة 
لمابينهماوالحج المبرور لیس له جزاء الاالجنة . (مشكوة ص۲۲۱) 
الو سے رواييت ےکر حضو راک رمس علی لم نے فر مایا ای کرو دوسر کرک كفاره ان 
( خرو گنا ہوں کے لج جوان ووفو رو کے درمياان مول اوررع مقبو لكابد صرف جت کک ے۔ 
(")وعن ابن عباس قال قال رسول الله صلی الله عليه وسلم ان عمرة في 
رمضان تعدل حجة. ‏ رمشكرة ص )٠۲۱‏ 
خضرت ابن كباش سے ردایت ےک تضوراکر مکی رل وم نے فر ای اک رمان لع رکرنے 
کاڈ اب ر کاڈ اب کے باس ايك دوایت هل کے اک کر نے کے براء ہے۔ 
(۵) وَعَن ان مزال قال سول الله صَلّی الله عليه سل یت اج مَل 
عليه َضافخة مره سر لک قبل ان بحل یه هر مسکوهس ۰۳ 
حطرت ام ر ے روات ےک رسول اش یلم نے فا یاجب ای ے لاقات 
کرو ا اعلام داور ای سے صما کر داور ای سے اپنے لئے دعا سے مخت طل بکرواس ےک کرد 
اپےگھ رم دائل وجا سے ۔ییدعا ای س ےکا یک کی ہا کی ہے۔ 
۱"( وعن ابی هريرقعن ابی صلی الله عليه وسلم قال الحاج والعماروفداله 
ان دعوه اجابهم وان استغفروه غفرلهم . مٹکرة ص۲۲۳ 
رت رونا سح دوا يت ہک تضور اک مکی الیل یرهطم فر مایا ر وكروكر وا تال 
کےۂہمان ہیں ۔ اکر ان تھی ےکوی دما کے ہیں اش تیال ا نکی ریا قو لکر سے اوراگرووان تال 
- مففرت ما گے زرا اتال کرت ر اج ے۔ 
۱ (4) وعنه فال سمعت رسول الله صلی الله عليه وسلم يقول وفد الله لا 
الغازی ر الحاج والمعتمر. (مشكرة ص۲۲۳۴ 
ا ات ےکر نے سول لف علیہ م ےق نے ہو سنا ےک 


ھی فطبات ۳۳ رضت 
تنم لوک اٹ تھا لی سك بماك ہیں (۱)جماوکر نے وا لے(۲ )کے والے(۳) عم رہکرنے وانے۔ 
(۸) وعنه قال قال رسول الله صلی الله عليه وسلم من خر ج حاجااومعتمرا او غازیاٹم 
مات فى طريقه کتب الله له اجرالغازی والحاج والمعتمر. (مشکرة ص ۲۲۳) 
ریت الد ہر ے روايت ہ ےک تضور کر لی اولہ علیہ وم ذف اج یماد کے 
ارات كم سے ألا او ربچ رای اس یل مركها فو اللہ تھالی اال کے لے جہادکر نے وا نے اور ور 
کرنے وا كت یکا وا بککھتاے_ 
(۹) وعن ابن عمر قال سمعت رسول الله صلی الله عليه وسلم يهل 
ملبدأيقول بيك اللّهم لبیک »لبيك لاشريك لک لبيك »ان الحمدواللعمة 
لک والملک لاشريك لک. (مشکرة م۲۳ 


کر مسا نان !یج سك خل یح رسا ران قاتا م سسبكو 
رهگ برکات سے مالاا ل فرمائے۔ 


رصلی الله تعالئ على خی ر خلقه محمد اواله وصحبه 
اجمعين برحمتک یاارحم الراحمين. (آمین ) 


لوث :_ یں“ کاو احص یل ہوا بتر <صتردر) نود پاسب ساب ال ناب 
دیرم خطہات ے_ 


OC® 


على خطرات nf‏ 7 


ا شوال ۱۳٣٣‏ گنر ورک لافار رس ور 


مرن ار 3 
.۰ قال الک تعالی وال ریک لا کت ای جال فی ازس نین 
قالزااتجعل فِيْهَامَنْ یفید فیها یفک اللماء» 
"اور جب تیرے رب نے فرشتو ںکوکہا کے شل زین عل اپنا ناب بنانے والامول فرشتول ےک ہک 
تو زین میں ا لوقا مكرتا جوال میں فسادکرے اورخون ببہاۓ'۔ 
00230 اه 
الترتقال ےکا نات وتات میں سب سے الل اسن سکوقر ارديس جوا 
زات وصفات اور کا تک اکتا بوبم تك روات نله گر رالات 
کارت عطا رای ویک فط رک ار کم یکی سرت وم السلا كانت الى ادرا 
يابت وظافنت سح فو ازاء سيران عيادت يبل فرشتو لک متام بت بائ تھا برض فرش اچ دا 
هیده نبل پڑے ہو ہیں گن پیات سے كرآ رع تک ت م بر 
غبادت میں »انما كو جود لكل یاک وج کی متنا چنا تال جب جنات سےا 
ارا تک وب سے زی نآ زاوکرالی اراک يول »نارول اور پہاڑو لگ طرف برذ بر 
كروادى لوال کے بعر اب تال نے ز مین سك انما م وانصرام اورا ی حرفت 2ص7 | 
رشتوں کے سا ےک فرشتو ل سو کہ الث تیال شر تون جنات ےترگ نا 
ز اش تھا لی رک شرب لو کرت اطا م جوا کے یں فر ا سے کا ارو تی ک کو ص۴ 
اھا چا ہم سے ید نیون ہوسا ے؟ کو رنحن نسبح بحمدک ونا پیا 
را کم پڑت د سيت نل تير خدبيال اود اکر تے ہیں تيرك باك ذا تا مم 
کیا مودت مال یک اراي کرت جد ون 
210001101010119 5 


على خطبات ۳۵( دلب 
نے ماکان اونا بات اناز سے جواب دیا کے شل جادنامو لم یس اس ۔اس کے بعد رنه 
شتو چھانے کے لے دوو لك ای کی مقا بلدا وى اتا کرای کف شط ليقن وين انقین 
ایکا طافت اش سك عیفر تدم علي الام تاي یرگن کے پا يوم 
> پچ اد تال نے آدم علیہ اسلا مکی سے يدا کیا تھا او کی تام خصوصيات ان س کی 
تاداس ول سے فا دہ شان ضرت آدم علي السلا مکی فطررت می سآ کیا یی ے 
شدای انسا نلویو کی ذو فط ری طور يركها نے کچ و ںکی طر تا ہوتا تھا ءا نلپ رك 
تو نو «فطر طوري پالی کےف کرک جات تھا کرک اورسردى سے متا ہو واس سے ا کوک ی اورس دی 
یال نزو لكا فطرى عل تھا اورفرشح ول بول دا سرد كر بت أشنا 2 اور ان 
نزول تا ہوتے ال لے ان کے پاس ان نزو لكان فطرى م تھا اورت یی کم تھا اوراتان 
اک ول ٹو ند ,وال اورغاصیات میں تھا۔ چنا چہ جب فرشتول ےسوال كران چچزوں کے 
وا ا قو نبول ےہا لاعلم لدا یل الک مت اور ج بآ دم علیہ السلا م ہے سوال واکان 
ول سكف ام کیا ئيل ؟ وانہوں نے فرفر سناد سي دنل اون پا ی ہو -2 يتب الثرتقالى 
نے ا اع مکی وجہ سے حر تآ وم علي السلا مويف ررر ایا روز دنک تا رو وكام س (اکر 
نار كلوق نر لون لق لاف سكتنا مضرور یا تك رشا نات 0ر 
مل اليا تک ا یط ر نی رف ماتے ہیں۔ 
نے !! 

خلاصہ ب كرتن تقال نے رت آدم علیہ السلا موب ریک كنا م مع ا كل حقيقت 
اورها صرت كارع ونتصان سم فر ماد یا اور يكم ان سك دل عل بلاواسطدكلام لقا کرد یا نگ پر 
کال یھی کے خلا نت اور وككومتكوك ركان ے؟ اس کے بعد ساكل سے امور يكور ہکا سوا لا 
ال بات تج كم کارخلات مهام د ے كك ہو سے مدق ان چزول م واحوال اون 
سنا بز تور قر ری اورخو ببھ گ کہ رونام عام لول کا رخلافت ز كن بر 
تل کنا اورا لم ھام سے تز ھل گر ہ مكو سل بویت بات سے تم فلا تال ہو کے بے 
را کر ےم و تک کو کی س۰ع كنال کے بح حطر آرم ے تنام ا شیا عا م 
مت وال ہوا تق فرفر سب امور الکو بتاد کے كرو وق سب دنک رہ کے او رحضر تآ وم عليه اللا م 


على خطيات 0 أفرم 


1 ie 
ڈایرہ!!‎ 
را مات :دا شاک ةدع مير‎ 


کر وه نموم ین هفت کلم بش ون انان سے 2 ال 2 مرج خلافت انان ی 

وط با ورگ بھی ا زيم رل ور ہونا بھی لول قل چا سے یوک عبادت تخا وتات 

تراک فیس الہ :عم خداتوال یکی صفت الل ہے اس لے ابل خلافت می مول 0)0 

اپ قلف ع اکال ہو اضروریدے۔ 

حر ت طا لو تک خلاف تک بج 
حفرت موى عل السلا م کے بعد وع رص تک با اما یل كام درست رپا را نکی نیت 

تب ان ای ککافر ہارشاہ جالوت مسلط بواء الل نے ا نکش رس کال دی اورلوث مارك اورا کو كرظلام 
بالات امن کے لوگ با کر بیت امقر میں جع ہو گے راس وت حت مويل ملالسلا م 
ےا ںوت وأ کان سے درخواس تک شاه رکرل وک ای کے ات ہوک رہم اد